Home » تازہ ترین » اسٹیٹ بینک نے کمرشل بینکوں کا ڈیٹا چوری ہونے کی رپورٹس مسترد کردیں

اسٹیٹ بینک نے کمرشل بینکوں کا ڈیٹا چوری ہونے کی رپورٹس مسترد کردیں

اسلام آباد:اسٹیٹ بینک نے کمرشل بینکوں کا ڈیٹا چوری ہونے کی رپورٹس کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ چند روز قبل صرف ایک بینک کا ڈیٹا چوری ہوا اور دوبارہ ایسا کوئی واقعہ پیش نہیں آیا۔

 اسٹیٹ بینک نے کمرشل بینکوں کے کارڈز کا ڈیٹا چوری ہونے سے متعلق ایف آئی اے کی رپورٹس کو مسترد کردیا ہے۔ اسٹیٹ بینک کے مطابق 27 اکتوبرکو صرف ایک بینک کا سیکیورٹی حصار توڑنے کا واقعہ پیش آیا اس کے بعد سے ایسا کوئی واقعہ پیش نہیں آیا، بینکوں کے ڈیٹا چوری ہونے کا کوئی ثبوت نہیں ملا۔اسٹیٹ بینک کے اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ ادارہ ایسی تمام رپورٹس کو مسترد کرتا ہے جس میں بینکوں کا ڈیٹا چوری ہونے کی بات کی گئی ہو کیوں کہ نہ تو ایسے کوئی شواہد ملے ہیں اور نہ ہی کسی بینک کی جانب سے ایسی کوئی شکایت موصول ہوئی ہے۔

اسٹیٹ بینک نے کہا کہ بینکوں کے ٹرانزیکشن نظام مضبوط بنانے کے لیے پہلے ہی ہدایت جاری کی جاچکی ہیں اور واضح طور پر کہا جاچکا ہے کہ کسی بھی سائبر حملے کی صورت میں بینک پیشگی تدارک کریں اسی لیے پیشگی احتیاط کے سبب چند بینکوں نے بین الاقوامی لین دین مکمل طور پر بند کر رکھا ہے، کمرشل بینکس اپنے خودکار سیکیورٹی سسٹم سے مطمئن ہیں اور اسٹیٹ بینک معاملے کی خود نگرانی کررہا ہے۔

About Admin

Google Analytics Alternative