Home » کھیل » انگلینڈ کا ایلسٹر کک کو ’سر‘ کا خطاب دینے کا اعلان

انگلینڈ کا ایلسٹر کک کو ’سر‘ کا خطاب دینے کا اعلان

انگلینڈ کی جانب سے سب سے زیادہ رنز اسکور کرنے والے سابق کپتان اور عظیم بلے باز ایلسٹر کک کو ان کی خدمات پر ’نائٹ ہڈ‘ کے اعزاز سے نوازنے اور ‘سر’ کا خطاب دینے کا اعلان کیا گیا ہے۔

انگلینڈ کے لیے 44.88 کی اوسط اور 33 ٹیسٹ سنچریوں کی مدد سے 12 ہزار 472 رنز اسکور کرنے والے عظیم انگلش بلے باز نے رواں سال ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا تھا۔

وہ دنیا کے ان چند کرکٹرز میں سے ایک ہیں جنہوں نے کیریئر کے پہلے اور آخری ٹیسٹ میچ میں سنچری اسکور کی۔

ایلسٹر کک نے 2006 میں ناگپور کے مقام پر بھارت کے خلاف ٹیسٹ میچ سے اپنے کیریئر کا آغاز کیا تھا اور 161 ٹیسٹ میچز میں 33 سنچریوں کی مدد سے 12 ہزار سے زائد رنز بنائے، جہاں ان کا سب سے زیادہ اسکور 294 رنز تھا۔

وہ ناصرف ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے زیادہ لگاتار 158 ٹیسٹ کھیلنے کے عالمی ریکارڈ کے مالک ہیں بلکہ اس کے ساتھ ساتھ انہیں انگلینڈ کی طرف سے زیادہ رنز بنانے، زیادہ سنچریاں، زیادہ 150 پلس اسکور، زیادہ ٹیسٹ میچز کھیلنے، بطور کپتان زیادہ میچز کھیلنے اور زیادہ کیچز تھامنے کا اعزاز بھی حاصل ہے۔

کک ‘سر’ کا خطاب حاصل کرنے والے دسویں انگلش کرکٹر ہوں گے، ان سے قبل آخری مرتبہ یہ اعزاز انگلینڈ کے سر ای این بوتھم نے حاصل کیا تھا۔

ان کی زیر قیادت انگلینڈ نے 59 ٹیسٹ میچوں میں فتوحات حاصل کیں جس میں انگلینڈ میں منعقدہ 2013 اور 2015 کی ایشز سیریز کی فتوحات شامل ہیں، جبکہ انہی کی قیادت میں انگلینڈ نے بھارتی سرزمین پر 1-2 سے ٹیسٹ سیریز میں فتح حاصل کی تھی۔

ان کے کیریئر کا سب سے بڑا کارنامہ 11-2010 کی ایشز سیریز میں اپنی ٹیم کو آسٹریلین سرزمین پر فتح دلانا تھا جب انہوں نے پانچ ٹیسٹ میچوں میں 766 رنز اسکور کیے تھے اور انگلینڈ نے 87-1986 کے بعد پہلی مرتبہ آسٹریلین سرزمین پر ایشز سیریز جیتنے کا کارنامہ انجام دیا تھا۔

ایلسٹر کک کو ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے زیادہ رنز بنانے والے عظیم بھارتی بلے باز سچن ٹنڈولکر کا ریکارڈ توڑنے کا سب سے مضبوط امیدوار تصور کیا جا رہا تھا کیونکہ ایک بلے باز کے طور پر وہ باآسانی مزید 3 سے 4 سال کرکٹ کھیل سکتے تھے، لیکن فارم نے ان کا ساتھ نہ دیا۔

انہوں نے خراب فارم کے سبب بھارت کے خلاف سیریز کے اختتام پر کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا لیکن کیریئر کے آخری ٹیسٹ میچ کو 71 اور 147رنز کی اننگز کھیل کر یادگار بنا لیا تھا اور ان کی اس اننگز کی بدولت انگلینڈ نے میچ میں 118رنز سے فتح حاصل کی تھی۔

About Admin

Google Analytics Alternative