Zaka-virus in America 108

”اگر امریکہ اس وباءکے خاتمے میں ہماری مدد کرتا ہے تو ہم اسے خوش آمدید کہیں گے۔

۔ دی مرر کے مطابق ہلاکتوں اور متاثرہ مریضوں کی تعداد میں ہوشربا اضافے کے بعد چین نے امریکہ سے بھی مدد مانگ لی ہے۔ گزشتہ روز چینی حکومت کی طرف سے بیان سامنے آیا تھا جس میں امریکہ پر الزام عائد کیا گیا تھا کہ وہ اس وائرس کو لے کر دنیا میں خوف پھیلارہا ہے اور چین میں صورتحال کو حقیقت سے بڑھ کر سنگین بتا رہا ہے۔ اب اس بیان کے اگلے ہی دن چین کی طرف سے کہا گیا ہے کہ ”اگر امریکہ اس وباءکے خاتمے میں ہماری مدد کرتا ہے تو ہم اسے خوش آمدید کہیں گے۔“رپورٹ کے مطابق چین میں یہ وباءاس قدر سنگین ہو چکی ہے کہ گزشتہ ایک دن میں 64لوگوں کی موت واقع ہوئی جو اب تک اس موت سے کسی ایک دن میں ہونے والی سب سے زیادہ ہلاکتیں ہیں اور برطانیہ سمیت دیگر ممالک کی طرف سے تنبیہ جاری کی گئی ہے کہ یہ وباءجلد تھمتی نظر نہیں آ رہی۔ خدشہ ہے کہ یہ مہینوں لوگوں کو اپنی لپیٹ میں لیے رکھے گی اور ہلاکتوں کی تعداد خوفناک حد تک زیادہ ہو سکتی ہے۔ چین میں اس وائرس کے مریضوں کی تعداد 20ہزار 438تک پہنچ چکی ہے جبکہ دیگر 23ممالک میں یہ وائرس پہنچ چکا ہے اور ان ممالک میں مجموعی طور اب تک 151مریض سامنے آ چکے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں