Home » کالم » اورمضامین/کالم » پاگل پن ، پھٹیچر اور ریلو کٹّے
kusar-abbas

پاگل پن ، پھٹیچر اور ریلو کٹّے

پی ٹی آئی کے سربراہ کہتے ہیں کہ PSL کا فائنل لاہور میں کرانا پاگل پن ہے ، خدا نہ کرے اگر کوئی حادثہ ہوگیا تو ہم اگلے دس سالوں کے لیے انٹرنیشنل کرکٹ کو پاکستان سے خیرباد کہہ دیں گے ، اتنی سیکیورٹی میں فائنل کرانا پاکستان کی سیکورٹی کاپول کھول دے گا ، خان صاحب کی اس بات پر جب شدید عوامی ردعمل آیا تو انہوں نے حسب عادت یوٹرن لیا اور کہنے لگے کہ میری مراد یہ تھی کہ صرف فائنل پاکستان میں کرانا پاگل پن ہے ، مجھ سے زیادہ پاکستان میں کرکٹ کی بحالی کا خواہشمند کوئی نہیں ، میں پاکستان میں فائنل کرانے کا مخالف نہیں ہوں بلکہ اس معاملے میں میرے کچھ تحفظات ہیں ، اب خان صاحب جو مرضی کہیں لیکن ان کے باطن کا حال عوام پر کھل چکا ہے ، خان صاحب کے دونوں بیان حقیقت سے کوسوں دور ہیں ، وہ کیسے ؟ اس بات کے تین دلچسپ پہلو ہیں ۔
پہلاپہلو یہ ہے کہ خان صاحب کے بیان سے لگتا ہے اورجیساکہ یہی کچھ میڈیا پر ان کا دفاع کرنے والوں کی طرف سامنے بھی آرہا ہے کہ فائنل اتنی سیکیورٹی میں نہیں ہونا چاہیے تھا ، گویا اعتراض فائنل پر نہیں بلکہ اس بات پر ہے کہ اتنی زیادہ سیکیورٹی فورسز لگائی جائیں گی ، پورا شہر بند ہوگا ، لوگوں کا آنا جانا مشکل ہو گا ، لاہور کی کچھ سڑکیں بند ہونے سے لوگوں کو تکلیف ہو گی ،پس فائنل یہاں نہیں ہونا چاہیے تھا ، اب کوئی خان صاحب سے پوچھے کہ کسی چیز کے نہ ہونے کا اگر یہی معیار ہے تو پھر آپ جس طرف تشریف لے جاتے ہیں وہاں بھی تو یہی کچھ ہوتا ہے ، جس جگہ آپ کا جلسہ ہوتا ہے وہاں بھی سیکیورٹی کا یہی حال ہوتا ہے ، اگر آپ نے کبھی کہیں جانا ہوتا ہے تو بھی عوام کی گزرگاہ وقتی طور پر بند ہوجاتی ہے ، روڈ بازار سب بند ہو جاتے ہیں ، اب آپ کے کلیے کے مطابق تو اگر اتنی سیکیورٹی میں ہی آپ کاآنا جانایا آپ کا جلسہ ہونا ہوتا ہے توکیا آپ کا آنا جانا اور جلسے کرانا پاگل پن ہے ؟
دوسراپہلو یہ ہے کہ آپ نے کہا کہ اگر کچھ ہوگیا تو اگلے دس سال کے لیے پاکستان انٹرنیشنل کرکٹ کے لیے محروم ہو جائے گا ، اب کوئی پوچھے کہ اگر یہ فائنل لاہور میں نہ ہوتا تو کیا اگلے سال سے پاکستان میں کرکٹ کی واپسی ہو جاتی ؟ جب کہ کامیاب ہونے کی صورت میں کچھ چانس تو ہے ، اس اعتبار سے فائدہ تو کرانے میں نظر آرہا ہے ، پھر بیان آیا کہ صرف فائنل پاکستان میں کراناپاگل پن ہے ، یعنی اگر سارے میچ یہاں ہوجاتے تو پھر پاگل پن نہیں تھا ، اب کوئی پوچھے کہ خان صاحب ! سیکیورٹی اور شہر کی جو بندش آپ ایک میچ کے لیے برداشت نہیں کرسکتے وہ اتنے میچوں کے لیے کیسے برداشت کرتے ؟
تیسراپہلو یہ ہے کہ اگر بات سیکیورٹی ہی کی ہے تو آپ ذرا انڈیا ہی کو دیکھ لیں ، وہاں جب IPL کا انعقادہوتا ہے تو سیکیورٹی کی وہاں بھی یہی حالت ہوتی ہے ، کچھ میچ تووہاں بھی ہوتے ہیں جہاں علیحدگی پسند تحریکیں چل رہی ہیں یا وہاں ان کی پذیرائی ہے ، وہاں بھی پورا پورا شہر فوج کے حوالے کردیا جاتا ہے ، سٹیدیم کے ارد گرد سیکیورٹی کا سخت حصارہوتا ہے ، اور دھماکے بھی وہاں پاکستان سے زیادہ ہوتے ہیں ، بھارت پچھلے دو سال سے دھماکوں میں پاکستان سے آگے رہا ہے ، 2015 میں بھارت میں 268 دھماکے ہوئے ، اسی طرح 2016 میں وہاں 337 دھماکے ہوئے ، یہ تعداد پاکستان تو کیا پوری دنیا سے زیادہ ہے ، لیکن اس کے باوجود وہ تمام کھلاڑی وہاں جاتے ہیں جو آج پاکستان آنے سے انکار کررہے ہیں ، اور کئی ایک نے خان صاحب کے ٹویٹ کے بعد آنے سے انکار کیا ہے ۔
آخر کیا وجہ ہے کہ سیکیورٹی کی حالت بھی بھارت میں زیادہ خراب ہے ، دھماکے بھی وہیں سب سے زیادہ ہوتے ہیں لیکن وہاں ہرکوئی جانے کے لیے تیار ہے جبکہ پاکستان میں حالات وہاں کی نسبت کم خراب ہیں لیکن پھر بھی آنے کے لیے کوئی تیار نہیں ہے ، ایسا کیوں ؟ ایسااس لیے کہ وہا ں لیڈرز مخالفت برائے مخالفت نہیں کرتے ، اختلافات اپنی جگہ مگر وہ لوگ ملک کی خاطر ایک ہوجاتے ہیں ، وہاں کوئی IPL کے انعقاد کو پاگل پن نہیں کہتا ، بلکہ وہاں اتنے سارے گند کے باوجود سب Shining Indai کانعرہ لگاتے ہیں ۔
پھرجب سب کچھ کامیابی سے ہوگیاتو بیان آیا کہ بڑانام تو کوئی نہیں آیا ، یہ سارے پھٹیچر اور ریلو کٹّے تھے ، انہوں نے پیسے کی خاطر آہی جانا تھا ، اس بیان کے مطابق تو ہر چھوٹا پھٹیچر ہے ، مثلاً آپ کی پارٹی میں بڑے ناموں کے علاوہ جوغیرمعروف لوگ ہیں ان کو آپ کیا نام دینا پسند کریں گے ؟ آپ اپنے ہسپتال میں تنخواہ بندکردیں تو پیسے نہ ملنے کی وجہ سے جو لوگ کام کرنا چھوڑدیں گے ،آپ ان کو کس نام سے پکاریں گے ؟ آپ نے بھی تو اپنے دور میں ایک میچ بھی مفت نہیں کھیلا، آپ بھی پیسے کی خاطر ہی کھیلا کرتے تھے ، تو اگر پیسے کی خاطر کھیلنے والے پھٹیچراور ریلو کٹّے ہیں تو آپ اپنے بارے میں کیا کہیں گے ؟ لیکن افسوس! یہ سب کچھ ہوگیامگر میں ’’پاگل پن ‘‘ سے ’’ پھٹیچر‘‘ تک کا سفرنامہ سامنے رکھ کر سوچ رہا ہوں کہ IK اور IQ میں کچھ فرق بھی ہوتا ہے یا نہیں ؟
Skip to toolbar
Google Analytics Alternative