109

پنجاب اسمبلی میں تقریر شروع کی تو اپوزیشن نے ’حریم زادہ‘ کے نعرے لگانا شروع کر دیئے۔

حریم زادہ کے نعروں نے فیاض الحسن چوہان کو بھی سیخ پا کردیا اور وہ اپوزیشن کو ماضی کے قصے یاد کرادیئے۔انہوں نے اپوزیشن کو دلشاد بیگم اور طاہرہ سید کا طعنہ دیتے ہوئے کہاآپ کا لیڈر نواز شریف ان کو گانے سنایا کرتا تھا، کسی کو یاد ہے کہ میں یاد کراو¿ں؟

فیاض الحسن کی یہ بات ن لیگی رہنما ملک ندیم کامران کو ذرا بھی نہ پسند انہوں نے کہا صوبائی وزیر ایوان کا ماحول خراب کر رہے ہیں۔ فیاض الحسن چوہان الفاظ کا چناو¿ بہتر کریں،جس پر وزیر اطلاعات پنجاب نے کہاارشد ملک نے جو فقرے کسے ہیں ابھی ریکارڈ پر ہے، سنائیں ان کو نکال کر۔

اس دوران صوبائی وزیراطلاعات نے کہا کہ انہوں نے ’جواب‘ دیا ہے،چیخ و پکار سے ان کی آواز کودبایا نہیں جاسکتا۔

اس موقع پررانا مشہود نے کہا حکومت کے اندر بے شمار اسکینڈل سامنے آ رہے ہیں تاہم فیاض الحسن چوہان ہمیشہ الفاظ کا بہتر چناو¿ نہیں کرتے۔لیگی رہنما نے کہا یہ خود اپنے گریبان میں جھانکیں، فیاض الحسن چوہان کی وجہ سے ایوان کا ماحول خراب ہوتا ہے۔

حریم، دلشاد اور طاہرہ سید پر ہونے والی اس گفتگو کے بعد پنجاب اسمبلی کا اجلاس پیر کی سہ پہر 3 بجے تک ملتوی کر دیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں