Home » تازہ ترین » چونیاں میں بچوں سے زیادتی و قتل کا ملزم 15 روزہ ریمانڈ پر پولیس کے حوالے

چونیاں میں بچوں سے زیادتی و قتل کا ملزم 15 روزہ ریمانڈ پر پولیس کے حوالے

لاہور: انسداد دہشت گردی عدالت نے چونیاں میں 4 بچوں سے زیادتی اور قتل کے ملزم سہیل شہزاد کو 15 روزہ ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا۔

چونیاں میں 4 بچوں سے زیادتی اور قتل کے گرفتار ملزم کو انسداد دہشت گردی عدالت میں پیش کیا گیا،  سی ٹی ڈی نے ملزم سہیل شہزاد کو سخت سیکیورٹی میں انسداد دہشت گردی عدالت میں پیش کیا، انسداد دہشت گردی عدالت کے جج عبدالقیوم خان نے ملزم کے جسمانی ریمانڈ کی درخواست پر سماعت کی، تفتیشی افسر اور ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل عبدالرئوف وٹو عدالت میں پیش ہوئے۔

عدالت نے تفتیشی افسر سے استفسار کیا کہ ملزم کا چہرہ ڈھانپنے کی کیا ضرورت ہے؟ جس پر تفتیشی افسر نے جواب دیا کہ ملزم کا چہرہ سیکیورٹی خدشات کی وجہ سے ڈھانپا گیا ہے۔ عدالت نے ملزم سے استفسار کیا کہ آپ کا کیا نام ہے؟ کیا آپ کچھ کہنا چاہتے ہیں؟ جس پر ملزم سہیل شہزاد نے جواب میں کہا کہ مجھے مارا نہ جائے۔

تفتیشی افسر نے عدالت میں مؤقف پیش کیا کہ  فیضان عرف مٹھو کو اغواء کر کے بد فعلی کے بعد قتل کیا گیا، جس کے بعد 1 ہزار 668  مشکوک افراد کے ڈی این اے ٹیسٹ کروائے گئے اور ملزم سہیل شہزاد کا ڈی این اے مقتول سے میچ ہوگیا۔ پراسکیوٹر جنرل عبدالرؤف نے عدالت سے استدعا کرتے ہوئے بیان دیا کہ آر پی او شیخوپورہ، ڈی پی او قصور اور ایس پی انویسٹی گیشن پر مشتمل جے آئی ٹی نے تحقیقات کی ہیں، اب تک کی تحقیقات سے ثابت ہوتا ہے کہ ملزم سہیل شہزاد ہی 4 بچوں سے زیادتی اور ان کے قتل میں ملوث ہے، عدالت سے درخواست ہے کہ مزید تحقیقات کے لئے ملزم کا 30 روزہ جسمانی ریمانڈ دیا جائے۔

عدالت نے ملزم کا میڈیکل کرانے کا حکم دیتے ہوئے ملزم سہیل شہزاد کو 15 روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا۔

 

About Admin

Google Analytics Alternative