Home » کالم » ’’کشمیر انتفادہ پلیٹ فارم‘‘ ۔ بھارتی جھوٹ کا تریاق

’’کشمیر انتفادہ پلیٹ فارم‘‘ ۔ بھارتی جھوٹ کا تریاق

ہمارے مغربی پڑوسی ملک بھارت میں رواں برس ماہ اپریل سے تئیس مئی تک کئی انتخابی مراحل طے ہونے کے بعد آرایس ایس کے منتخب کردہ کارسیوک نریندرامودی ایک بار پھر بھارت کی وزارت عظمیٰ پراگلے پانچ برس کےلئے براجمان ہوگئے ہیں بھارتی عوام نے فیصلہ کیا ہے اعتراض کرنے والے ہم کون;238;مگر یہ نکتہ کیسے بھلادیا جائے کہ بھارتی الیکشن کی گہماگہمی میں مودی نے اپنی انتخابی ریلیوں سے جہاں جہاں خطاب کیا اْنہوں نے اپنی انتخابی تقریروں زہریلے طنزیہ انداز میں پاکستان’پاکستانی فوج اورپاکستانی حساس ادارے آئی ایس آئی کے نام ضرور لیئے انتخاب جتنے کے بعد دیش کی وزارت عظمیٰ کو اگلے پانچ برس کے لئے حاصل کرنے کی اس بے تابانہ جنونی مہم میں مودی نے اپنے عزائم کونمایاں اہمیت دی جو پاکستان دشمنی کی بنیاد کے واضح عکاس تھے چونکہ انتخاب وہ جیت چکے بحیثیت پاکستانی یہاں ہ میں دیکھنا یہ ہے کہ مودی بھارت جیسے ایٹمی دیش کے وزیر اعظم بننے کے بعد جنوبی ایشیا کے امن کوغارت کرنے کے لئے اب اورکیا کیا گل کھلاتے ہیں ;238; کاش!وہ پاکستان دشمنی کے جذباتی اور جنونی کھوکھلے نعروں کی بجائے اپنے دیش کے کروڑوں مفلوک الحال عوام جوپہلے ہی بھوک سے تنگ ہیں روٹی روزگار سے محروم ہیں تعلیم اور صحت کی بنیادی ضروریات کے لئے ترس رہے ہیں اْن کی انسانی ضروریات کی فراہمی کا وہ کوئی منصوبہ اپنے عوام کو دیتے;238; مگر آرایس ایس نے ہر قیمت پر یہ انتخاب جیتنے کے لئے عوام سے ایک مرتبہ پھر جھوٹے وعدے کرلیئے پاکستان دشمنی کا کس بل پاکستانی فضائیہ نے بھارتی فضائی جارحیت کے موقع پر کرارا جواب دیتے ہوئے کافی حد تک نکال تو دیاتھا مگرمودی اور اْن کے حواری ماننے والے کہاں ;238;مودی جی نے اپنے انتخابی ریلیوں میں مقبوضہ جموں وکشمیر کے تاریخی ریاستی اسٹیٹس کو تبدیل کرنے جیسی بڑی احمقانہ باتیں بھی وعدوں کی صورت میں کرڈالیں زیر نظرآج کے کالم میں ہم یہی تذکرہ کریں گے اوربھارتی جھوٹ کا پردہ مودی اور امیت شا کے جھوٹے پروپیگنڈے کا پردہ فاش کرکے دنیا کو بتانے کی کوشش کریں گے کہ بھارتی پروپیگنڈا باز پالیسی سازحلقے مقبوضہ وادی کے انسانی مسئلہ پر اب مزید دھوکہ دہی اور فریب زدگی کے سہارے فیک نیوز یا جعلی خبریں پھیلانے کی جتنی بھی کوششیں کریں کشمیری عوام اور پاکستانی عوام سمیت پْرامن دنیا اپنی آنکھیں بند کرکے ایسی جھوٹی اور فیک نیوز کواب تسلیم نہیں کرسکتی مسئلہ کشمیر کی پْرامن تحریک آزادی کونائین الیون کے واقعہ کے بعد دہشت گردی سے منسلک کرنے کی نیت سے بھارت نے ایڑی چوٹی کا زور لگا دیا ان برسوں میں نئی دہلی نے کیا کیا پاپڑ نہیں بیلے بھارتی اور اسرائیلی میڈیا نے اور دنیا بھر میں پھیلے ہوئے مسلم دشمنی میں بدنام ترین لابیسٹ گروہ نے ڈالرز کی ریل پیل لگادی مگر مسئلہ کشمیر کی برحق آزادی کو نئی دہلی حکومت اپنے جھوٹ بولنے کی عادت رزیلہ کی پراگندگی سے آلودہ کرنے میں بہت بْری طرح سے ناکام ہوئی ہے کیونکہ جھوٹ بولنا اور جھوٹ پھیلانا آخر کار شرمندگی کا باعث ہی ہوتا ہے بحیثیت مسلمان ہمارا ایمان ہے ’’ جھوٹوں پراللہ تعالی کی لعنت ہے‘‘ واضح ہوگیا کہ جھوٹ بولنا اور جھوٹی من گھڑت باتیں اور خبریں پھیلانا اسے جو بھی اختیار کرئے گا وہ معلون ہوگا اور لعنتی ہوگا بھارت پاکستان کا ازلی دشمن جس نے قیام پاکستان کے موقع کا فائدہ اْٹھا کر جموں وکشمیر میں اپنی فوجیں اتاردی تھیں وہ وقت ہے اور آج کا دن پاکستان بھارت کی آنکھوں میں کانٹے کی مانند کھٹک رہا ہے کشمیر کے عوام اور پاکستان کے عوام باہم ایک ہیں یہی وجہ ہے کہ بھارت پاکستان کو نیچا دکھانے کا کوئی موقع ہاتھ سے جانے نہیں دیتا وہ پاکستان اور کشمیر میں اپنی مزاحمتی تحریک کو ہر قیمت پر جاری رکھنے والے حریت پسندوں کو نیچا دکھانے کے لیے دنیا میں جھوٹی خبریں پھیلاتا رہتا ہے دنیا بھر میں کشمیر میں بھارتی فوج کے متواتر مظالم کو چھپانے کے لئے ذراءع ابلاغ میں حقائق کو توڑ موڑ کے پیش کرنے میں بھارتی میڈیا کا ایک بہت بْرا ریکارڈ ہے جس میں آج تک کوئی تبدیلی واقع نہیں ہوئی ان تمام برسوں میں جو چیز تبدیل ہوئی ہے وہ یہ ہے کہ بھارتی ذراءع ابلاغ کے توسط سے جھوٹی خبریں اب سوشل میڈیا کے ذریعے بھی پل بھر میں بین الاقوامی سرحدیں عبور کر کے دور دور تک پھیل جاتی ہیں یوں غیر جانبدار عالمی حلقے بھی بہت محتاط رہنے کے باوجود وہ سچ تک نہیں پہنچ پاتے لہذا شہید مظفروانی کی والہانہ شہادت کی اسٹوری ہو یا دختران ملت کی جرات مند رہنما آسیہ اندرابی کو پیش کرنے کی کوئی تشہیری سبیل بھارتی حکومت اوروادی کی کٹھ پتلی حکومت نئی دہلی کے غلامانہ ہر ذراءع نے جرات وعزیمت کی ان سچی خبروں کو روکنے کی جب اپنی انتہا کردی تو مقبوضہ وادی کے اعلی تعلیم یافتہ کشمیر کی آزادی کی تحریک کو مزید توانا کرنے والے نوجوانوں نے فیصلہ کیا ہے اْن کے اس دوٹوک فیصلے کا جواب ‘کشمیر انتفادہ ویب ساءٹ’ پر دیکھا جانے لگا ہے’’دا ڈیجٹل انٹیلی جنس‘‘ نامی ویب ساءٹ ایڈمن کے بینر تلے اب مقبوضہ وادی کی خبریں دنیا بھر میں دیکھی اور پڑھی جاسکتی ہیں اس ویب پر کئی انواع کی گیمز لانچ کردی گئی ہیں جس کے روح رواں ڈاکٹر عمیرہارون ہیں ’’کشمیر انتفادا پلیٹ فارم‘‘ اور’’ گیم ‘‘کا مقصد مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے مظالم، آذادی کی جدوجہد کرنے والی تنظیموں کی کاوشیں ، بھارت میں بڑھتی ہوئی ریاستی ذرد دہشت گردی، اجیت ڈوال کی پاکستانی سپریم انٹیلی جنس ایجنسی آئی ایس آئی کے خلاف مکارانہ سازشوں کی شیطان صفت کارروائیاں بے نقاب ہوتی ہوئی ہر کسی کوبا آسانی ملیں گی بھارتی جھوٹی پروپیگنڈا مہمات کے زہرکے تریاق کا نام ہے’’کشمیر انتفادہ پلیٹ فارم‘‘جو مقبوضہ وادی میں جدوجہد آزادی اور جدوجہد آزادی کی زور پکڑتی ہوئی اس تحریک میں کشمیری خواتین کے اہم کردار کو نمایاں کرنے میں بڑا اہم رول ادا کررہا ہے دیکھتے ہی دیکھتے ‘’’کشمیر انتفادہ پلیٹ فارم‘‘کے لاتعداد بلوگرز اورولوگرز سیکشنز ہماری صرف ایک کلک پر ہمارے سامنے آجاتے ہیں اس کی بے پناہ مقبولیت کا اندازہ آپ یوں لگاسکتے ہیں کہ پاکستان کے مشہور ومعروف اداکار’اداکارائیں ’ جانے مانے ہوئے صحافی ‘دانشور ٹی وی نیوز اینکرز اور سیاست دان سبھی ہرکسی کو مقبوضہ کشمیری عوام کے ساتھ اظہاریکجتی کرتے ہوئے ضرور ملیں گے اور نئی دہلی کے لئے اب پیغام ہے کہ’’ مسئلہ کشمیر کے حوالے سے بھارتی جھوٹ کو اب پنپنے نہیں دیا جاسکتا ‘‘ ۔

About Admin

Google Analytics Alternative