Home » تازہ ترین » گوشت کھانا آنتوں کے امراض سے بچائے

گوشت کھانا آنتوں کے امراض سے بچائے

ویسے تو کہا جاتا ہے کہ سرخ گوشت کو زیادہ کھانا صحت کے لیے نقصانہوسکتا ہے تاہم اب یہ دعویٰ سامنے آیا ہے کہ یہ غذا آنتوں کے مختلف امراض سے تحفظ میں مددگار ثابت ہوسکتی ہے۔

یہ دعویٰ امریکا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا۔

واشنگٹن یونیورسٹی کی تحقیق میں بتایا گیا کہ حیوانی پروٹین (سرخ گوشت، چکن، انڈوں وغیرہ) اور چاکلیٹ کو کھانا آنتوں کی سوزش یا ورم سے جڑے امراض سے بچانے میں مدد دے سکتا ہے۔

آنتوں کے امراض میں معدے میں درد، پیٹ پھولنا، فضلے میں خون آنا، ہیضہ، جسمانی وزن میں کمی اور شدید تھکاوٹ قابل ذکر ہیں۔

عام طور پر اس طرح کے امراض میں گوشت اور چاکلیٹ سے دور رہنے کو کہا جاتا ہے مگر نئی تحقیق کے مطابق ان میں موجود امینیو ایسڈ ٹرائیپٹوفن جسمانی دفاعی خلیات کو آنتوں کی خرابی ٹھیک کرنے میں مدد دیتے ہیں۔

تحقیق کے مطابق یہ خلیات نقصان دہ جراثٰموں کو جسم میں چھپنے نہیں دیتے اور معدے کے نظام کو بگڑنے نہیں دیتے۔

چوہوں پر کیے جانے والے تجربات میں ان غذاﺅں کے فوائد کو جانا گیا اور محققین کے مطابق ان کے ذریعے جو خلیات حرکت میں آتے ہیں، وہ نظام ہاضمہ کو بہتر بناتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ انسانوں پر بھی یہ اسی طرح کام کریں گی۔

اس تحقیق کے نتائج جریدے جرنل سائنس میں شائع ہوئے۔

اس سے پہلے گزشتہ ماہ امپرئیل کالج لندن کی تحقیق میں بتایا گیا کہ گوشت اور دیگر غذاؤں میں موجود آئرن کی جسم میں زیادہ مقدار خون کی شریانوں کے امراض سے تحفظ دیتی ہے جو کہ امراض قلب کا باعث بنتے ہیں

About Admin

Google Analytics Alternative