46

گیانا کے اقوام متحدہ میں سفیر روڈولف مائیکل ٹین-پو جن کے ملکوں کے پاس 2020 میں جی77 کی چیئرمین شپ ہے نے کمیشن کے سماجی ترقی بارے 58ویں اجلاس کے دوران کہاہے کہ چین کی نوول کرونا وائرس کی وبا کیخلاف وسیع کوششوں کی مکمل حمایت کرتے ہیں

غیر ملکی میڈیا کے مطابق گیانا کے اقوام متحدہ میں سفیر روڈولف مائیکل ٹین-پو جن کے ملکوں کے پاس 2020 میں جی77 کی چیئرمین شپ ہے نے کمیشن کے سماجی ترقی بارے 58ویں اجلاس کے دوران کہاہے کہ چین کی نوول کرونا وائرس کی وبا کیخلاف وسیع کوششوں کی مکمل حمایت کرتے ہیں اور چینی کوششوں سے عالمی برادری کے ساتھ تعاون بڑھنے میں سمجھتے ہیں۔وبا پر جلد قابو پانے کیلئے جی77 عالمی برادری پر زور دیتا ہے کہ وہ ذمہ داری،شفافیت،یکجہتی، تعاون کے ساتھ کام کرے اور امتیازی سلوک،بدنام کرنے اور غلط معلومات کا تدارک کرے تاکہ اس وبا پر جلد سے جلد قابو پایا جاسکے۔

انہوں نے کہاکہ گروپ دنیا کی صحت بارے عالمی ادارہ برائے صحت کی تیاری اور جواب پربھی زور دیتا ہے جبکہ ڈبلیو ایچ او کی وبا کو روکنے کیلئے پیشہ ورانہ رہنمائی پر عمل کرنے کا کہتاہے۔اقوام متحدہ کے معاشی اور سماجی امور کے انڈرسیکرٹری جنرل لیو ژین من نے کہاہے کہ میں نے صحت سے متعلق اس عالمی چیلنج سے نمٹنے کیلئے چین کی کوششوں اور نمٹنے کی قوت کو تسلیم کرانے کیلئے سیکرٹری جنرل اور اقوام متحدہ کے ساتھ منسلک تمام اداروں کے سربراہوں کو ساتھ ملایا ہے۔لیو نے کہاکہ اقوام متحدہ کے ساتھ منسلک ادارے کرونا وائرس کی وبا کیخلاف جنگ میں چین کی حکومت اور اس کے عوام کی مدد کرنے کیلئے تیار ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ہم پر اعتماد ہیں کہ چین جلد ہی کرونا وائرس کی وبا پر قابو پانے میں کامیاب ہوجائے گا۔کمیشن برائے سماجی ترقیکے 58ویں اجلاس کے چیئرمین اور اقوام متحدہ میں کوٹ ڈی آئیوری کے ڈپٹی مستقل مندوب گبولی ڈیزائر وولفران ایپو نے وبا کیخلاف جنگ میں چین کی اعلی سطح سیاسی عزم اور حکومت کی غیرمعمول کوششوں کو سراہا اور عالمی تعاون اور یکجہتی پر زور دیا۔ جی 77 اقوام متحدہ میں ترقی پذیر ممالک کا ایک اتحاد ہے جس کا مقصد عالمی ادارے میں اپنے ارکان کے اجتماعی سیاسی اور معاشی مفادات کو فروغ دینا ہے۔حالانکہ اس گروپ کے 77 بانی ارکان تھے،اب اس گروپ کے ارکان کی تعدادبڑھ کر130 تک پہنچ چکی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں