Home » 2017

Yearly Archives: 2017

روئی کی قیمتیں 7 سال کی بلند ترین سطح تک پہنچ گئیں

کراچی: روئی کی قیمتوں میں غیر معمولی تیزی کا رجحان غالب ہوگیا ہے تاہم صرف 2 روز کے دوران پاکستان میں روئی کی قیمت ریکارڈ 400 روپے فی من اضافے کے بعدگزشتہ 7 سال کی نئی بلند ترین سطح8ہزار روپے فی من تک پہنچ گئیں جبکہ آئندہ چند روز میں روئی کی قیمتوں میں مزید اضافے کا امکان۔

چیئرمین کاٹن جنرز فورم احسان الحق نے بتایا کہ توقع کی جا رہی تھی کہ اپٹما کی اپیل پر 29 نومبر کو ہونے والے اقتصادی رابطہ کمیٹی کے اجلاس میں روئی کی درآمد پر عائد9فیصد مختلف ٹیکسز اور کسٹم ڈیوٹی واپس لے لی جائیں گی جس کے باعث پچھلے چند روز سے ملک بھر میں روئی کی قیمتیں ٹھہراؤکا شکار تھیں تاہم اقتصادی رابطہ کمیٹی کے مذکورہ اجلاس میں اس بارے میں کوئی فیصلہ نہ ہونے کے باعث جمعہ اور ہفتے کے روز روئی کی قیمتوں میں غیر معمولی تیزی کا رجحان سامنے آیا جس کے دوران روئی کی قیمت گزشتہ 7 سال کی نئی بلند ترین سطح 8 ہزار روپے فی من پر پہنچ گئیں جبکہ توقع ظاہر کی جا رہی ہے کہ بینکوں کی تعطیل کے باعث منگل سے شروع ہونے والے نئے کاروباری ہفتے کے دوران روئی کی قیمتوں میں مزید تیزی کا رجحان سامنے آئے گا۔

احسان الحق نے بتایا کہ کچھ عرصے قبل پاکستان میں روئی کی قیمتوں میں اضافے کا رجحان اس وقت سامنے آیا تھا جب روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر کی قدر میں نمایاں اضافہ ہوا تھا جبکہ روئی کی قیمتوں میں اضافے کی ایک اور بڑی وجہ بھارت میں بھی روئی کی قیمتوں میں تیزی کا رجحان ہے جس کے باعث پاکستانی ٹیکسٹائل ملز مالکان کے لیے بھارت سے روئی کی درآمد فائدہ مند ثابت نہیں ہورہی ہے۔انہوں نے بتایا کہ کچھ عرصہ قبل پاکستان میں روئی اور پھٹی کی قیمتوں میں تیزی کا رجحان اس وقت سامنے آیا تھا۔کپاس کی مجموعی ملکی ملکی پیداوارکے ابتدائی تخمینوں کی نسبت کافی کم ہونے کے اعداد و شمار سامنے آئے تھے۔

چیئرمین کاٹن جنرز فورم نے بتایا کہ حکومت پاکستان نے کاٹن سال 2017 18کے لیے کپاس کا پیداواری ہدف ایک کروڑ 40 لاکھ گانٹھ یا (170کلو گرام) مقررکیا گیا تھا جبکہ ماہرین کا کہنا ہے کہ رواں سال پاکستان میں کپاس کی مجموعی ملکی پیداوار ایک کروڑ 15 لاکھ گانٹھ یا (160کلو گرام) متوقع ہے۔

رانا ثناء اللہ کی طاہر القادری کے روبرو بے گناہی ثابت کرنے کی پیش کش

فیصل آباد: وزیر قانون پنجاب رانا ثناء اللہ نے ماڈل ٹاؤن سانحے کا معاملہ حل کرنے کے لیے پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ طاہر القادری کے روبرو اپنی بے گناہی ثابت کرنے کی پیش کش کر دی۔

فیصل آباد میں میڈیا سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ طاہرالقادری قرآن پر بیان دیں، ہم بھی بے گناہی ثابت کرنے کو تیار ہیں، ماڈل ٹاون ایک واقعہ تھا جس میں نہ کوئی پلاننگ شامل تھی نہ کسی نے گولی چلانے کا حکم دیا۔

رانا ثناء اللہ نے کہا کہ ہم اپنی بے گناہی انکوائری میں ثابت کر چکے ہیں۔

اس موقع پر انہوں نے جاں بحق ہونے والوں کی دیت کے لیے خرم نواز گنڈاپور سے مذاکرات کی بھی تصدیق کر دی۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم سے پہلی بار استعفیٰ نہیں مانگا جارہا، ساڑھے چار سال سےمانگ رہے ہیں اور عدم استحکام پیدا کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

وزیر قانون پنجاب نے کہا کہ دھرنے، لانگ مارچ اور ریلیوں کا مقصد پاکستان کی ترقی کو روکنا تھا، تمام سازشوں کے باوجود ملک سے لوڈشیڈنگ کا خاتمہ ہوا، قوم ان لوگوں کو پہچان چکی ہے، الیکشن میں سازشی قوتوں کو ووٹ سے شکست دیں گے، نواز شریف کی قیادت میں قوم متحد ہے۔

رانا ثناء اللہ نے کہا کہ طاہرالقادری، آصف زرداری اور عمران خان ایک دوسرے کو برا بھلا کہہ چکے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ خرم نواز گنڈا پور مجھ سے ملنے ماڈل ٹاؤن بھی تشریف لائے، ان کے ساتھ معاملہ طے نہیں ہوا، چاہتے ہیں مقتولوں کےورثاء کو معاوضہ دیا جائے، معاوضے کے معاملات وزیراعلیٰ شہباز شریف کی منظوری سے طے کرنے کی کوشش کی گئی۔

ان کا کہنا تھا کہ کچھ لوگ سیاست کیلئے پیرصاحب اور دیگر مشائخ کو استعمال کررہے ہیں، پیرحمیدالدین سیالوی کا بہت عزت اور احترام ہے۔

رانا ثناء اللہ نے کہا کہ اس سانحہ کو سیاسی مہم جوئی کا حصہ نہ بنایا جائے، غریبوں کی لاشوں پرسیاست نہ کی جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ میرا استعفی میرے ہاتھ میں نہیں، پارٹی نے فیصلہ کرنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ 2018 میں عمران خان سیاست سےفارغ ہوجائیں گے۔

پیر حمید سیالوی کا طاہر القادری کے احتجاج میں شمولیت سے انکار

تونسہ شریف: آستانہ عالیہ سیال شریف کے گدی نشین پیر حمید الدین سیالوی نے پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ طاہر القادری کے احتجاج اور دھرنے میں شرکت سے انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کا کوئی سیاسی ایجنڈا نہیں۔

تونسہ شریف میں آل پاکستان علما مشائخ کانفرنس ہوئی جس کے ساتھ ساتھ ختم نبوت کے ایجنڈے پر مشاورتی اجلاس بھی ہوا۔ کانفرنس میں پنجاب ، سندھ اور آزاد کشمیر سے تعلق رکھنے والے 15 سے زائد مشائخ شریک ہوئے۔ اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پیر خواجہ حمید الدین سیالوی نے کہا کہ ہمارا موقف ختم نبوت اور ناموس رسالت ﷺ ہے جس سے پیچھے نہیں ہٹ سکتا، دنیا کی کوئی طاقت مجھے نہیں ہلاسکتی اورکوئی دولت مجھے نہیں خرید سکتی۔

پیر حمید سیالوی نے طاہر القادری کے احتجاج میں شمولیت سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ میں کسی بھی دھرنے میں شریک نہیں ہوں گا، میری تحریک محض ختم نبوت ہے اور کوئی سیاسی ایجنڈا نہیں، طاہرالقادری نے ہم سے کوئی رابطہ کیا نہ ہم ان کے دھرنے میں جائیں گے، میں نے رانا ثنااللہ سے متعلق کوئی ڈیڈ لائن نہیں دی، ہم نے ن لیگ کو مہلت نہیں دی بلکہ انہوں نے ہم سے مہلت مانگی ہے۔

حمید الدین سیالوی کا کہنا تھا کہ ہمارا مطالبہ رانا ثنااللہ کا استعفی ہے اور تحریک ختم نبوت اور ناموس رسالت ہے، ہمارا کسی سیاسی جماعت سے تعلق ہے اور نہ ہی سیاست کرنے نکلے ہیں، 9 جنوری کو سیال شریف میں فیصلہ کن کنونشن ہوگا جس میں لاہور میں احتجاج کا فیصلہ کیا جائے گا۔

متحدہ عرب امارات میں لائیو انٹرنیٹ کال سروس اسکائپ بند

دبئی: متحدہ عرب امارات میں آن لائن فری ویڈیو اور آڈیو کال کی ایپلی کیشن اسکائپ پر پابندی عائد کردی گئی۔

اماراتی میڈیا کے مطابق یواے ای حکومت نے موبائل، لیپ ٹاپ، ٹیبلٹ سے انٹرنیٹ کے ذریعے ہونے والی مفت ویڈیو اور آڈیو کال کی سہولت ختم کردی۔ مواصلاتی کمپنی  نے اپنی ٹویٹ میں بتایا کہ اسکائپ کو غیر لائسنس شدہ آئی ڈیز کی وجہ سے وائس اوور انٹرنیٹ پروٹوکول VOIP تک رسائی بند کردی ہے۔

اسکائپ نے اپنی ویب سائٹ پر جاری بیان میں کہا ہے کہ یواے ای حکام نے ہماری توجہ اس جانب مبذول کرائی ہے کہ ان کی ایپلی کیشن کو پورے امارات میں بند کردیا گیا ہے اور اسکائپ کی یہ سروس غیر معینہ مدت تک فراہم نہیں ہوسکتی۔

مفت ویڈیو آڈیو کال کی سہولت سے محروم ہونے والے صارفین نے حکومت کے اس اقدام پر شدید تنقید کرتے ہوئے سوشل میڈیا پر اپنے غم و غصے کا اظہار کیا ہے اور حکومت سے فیصلے پر نظرثانی کا مطالبہ کیا ہے۔

قومی کرکٹ ٹیم کے نیوزی لینڈ پہنچتے ہی سیر سپاٹے، تاریخی مقامات کا دورہ

لاہور: پاکستان کرکٹ ٹیم کے نیوزی لینڈ پہنچتے ہی سیر سپاٹے، تاریخی مقامات کا دورہ کیا اور ٹیم بلڈنگ واک میں بھی حصہ لیا۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کو نئے سال کے آغاز میں ہی نیوزی لینڈ کیخلاف ایک روزہ اور ٹی20 سیریز کے چیلنج کا سامنا ہے، کیویز کو اسی کے دیس میں زیر کرنے کا عزم لیے گرین  شرٹس سرفراز احمد کی قیادت میں نیوزی لینڈ میں موجود ہیں اور میزبان سائیڈ کیخلاف 5 ایک روزہ میچزکی سیریز کے پہلے میچ میں 6جنوری کو ایکشن میں دکھائی دینگے۔

سیریز کی  تیاریوں سے قبل پاکستان کرکٹ ٹیم نے گزشتہ روزنیلسن شہر کے تاریخی مقامات کا دورہ کیا اور ٹیم بلڈنگ واک میں بھی حصہ لیا، ہیڈ کوچ مکی آرتھر سمیت تمام دوسرے کوچزبھی ہمراہ تھے، اس موقع پر کپتان سرفراز احمد، شعیب ملک، محمد حفیظ سمیت تمام کھلاڑی خوش دکھائی دیے اور انھوں نے تاریخی مقامات کی جی بھر کے سیرکرنے کے ساتھ تصاویر بھی بنائیں۔

مزید معلوم ہوا ہے کہ پاکستانی ٹیم نیوزی لینڈ کے خلاف ایک روزہ سیریزکی تیاریوں کیلیے اتوار سے باقاعدہ پریکٹس کا آغاز کریگی۔ ابتدائی مرحلے میں پلیئرز کو مخصوص جسمانی وزرشیں کروانے کے بعد فیلڈنگ، بیٹنگ اور بولنگ کی پریکٹس بھی کرائی جائیگی، قومی ٹیم دورے کی شروعات منگل کی شب شیڈول ون ڈے پریکٹس میچ سے کریگی، جس میں ان کا سامنا نیوزی لینڈ الیون سے ہوگا، یہ مقابلہ نیلسن کے سیکسٹون اوول گراؤنڈ پر شیڈول کیاگیا ہے، جس کے بعد دونوں ممالک میں شیڈول پانچ ون ڈے انٹرنیشنل میچز پر مشتمل سیریز کا افتتاحی ٹاکرا 6 جنوری کو ویلنگٹن کے بیسن ریزرو گراؤنڈ پر ہوگا۔

9 جنوری کو شیڈول دوسرے ایک روزہ میچ کی میزبانی نیلسن کریگا، تیسرے مقابلے کیلیے دونوں ٹیمیں ڈونیڈن میں پڑاؤ ڈالیں گے، جہاں 13 جنوری کو یونیورسٹی اوول پر ٹاکرا ہوگا، چوتھا ون ڈے انٹرنیشنل ہیملٹن کے سیڈون پارک پر شیڈول کیاگیا ہے، پانچویں اور اختتامی میچ کیلیے دونوں ٹیمیں 19 جنوری کو ایک بار پھر ویلنگٹن میں مدمقابل آئیں گی، اسی مقام پر ٹی 20 سیریز کا پہلا مقابلہ 22 جنوری کو شیڈول کیاگیا ہے، 25 جنوری کو مختصر فارمیٹ کا دوسرا مقابلہ آکلینڈ میں منعقد ہوگا جبکہ 28 جنوری کو گرین شرٹس اپنا اختتامی مقابلہ ماؤنٹ مینگوئنی میں کھیلیں گے۔

لیگی قائدین کا مشن سعودی عرب، نواز شہباز کی ون ٹو ون ملاقات

لاہور: سیاست کے نشیب و فراز نیا موڑ مڑنے لگے ہیں۔ لیگی قائدین کا مشن ریاض میں سرگرم ہے۔ نواز شریف اور شہباز شریف کے درمیان ون ٹو ون ملاقات ہوئی۔

ریاض کے ایک ہوٹل میں ہونے والی اس ملاقات کے دوران سیاسی صورتحال پر بات چیت کی گئی۔ ذرائع کے مطابق، وزیر اعلیٰ پنجاب اور سابق وزیر اعظم کی اہم سعودی شخصیات سے بھی آج ہی ملاقات کا امکان ہے۔ یاد رہے کہ خواجہ سعد رفیق اور چند دیگر لیگی اکابرین اور نواز شریف کے قریبی رفقاء بھی ان دنوں سعودی عرب ہی میں موجود ہیں۔

نواز شریف اور دیگر لیگی رہنماؤں کا دورہ سعودی عرب مسلسل افواہوں کے بھنور میں ہے۔ سیاسی مخالفین کے مطابق، دورے کا مقصد نواز شریف پر قائم مقدمات یا ان کی نااہلی کے فیصلے کے حوالے سے کسی مبینہ ریلیف پیکج پر غور کرنا ہے۔ تاہم لیگی حلقے اس افواہ کی مسلسل تردید کر رہے ہیں۔

بعض مبصرین اس دورے کو پاک امریکہ تعلقات، افغانستان کی صورتحال اور اس حوالے سے امریکہ کی پاکستان سے توقعات اور عرب ممالک میں جاری سیاسی و جنگی حالات کے تناظر میں بھی دیکھ رہے ہیں۔

پریانکا نے کرن جوہر کو تھپڑ رسید کردیا

بالی وڈ اداکارہ پریانکا چوپڑا نے فلمساز کرن جوہر کو تھپڑ رسید کردیا۔

پریانکا چوپڑا ان دنوں بھارت میں موجود ہیں اور امریکہ سے فلموں کی شوٹنگ کی چھٹیاں لے کر بھارت آئی ہیں۔

بھارت میں جہاں انہوں نے ایوارڈ شو کی تقریب میں شرکت کی وہیں انہوں نے دیگر کئی تقریبات اور سماجی کاموں میں بھی بڑھ چڑھ کر حصہ لیا ہے۔

بالی وڈ اداکارہ فلمساز کرن جوہر اور ہدایت کار روہت شیٹھی کے ریئلٹی شو ’انڈیاز نیکسٹ سپر اسٹازر‘ کے سیٹ پر پہنچیں جہاں انہوں نے کئی سوالوں کے جواب دیتے ہوئے شاہ رخ خان کی فلم ’دل والے دلہنیا لے جائیں گے‘ کو اپنی پسندیدہ ترین فلم قرار دیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ادکارہ اور دونوں ہدایت کاروں نے ریئلٹی شو میں فلم ’دل والے دلہنیا لے جائیں گے‘ کا وہ سین دوبارہ سے کرنے کا فیصلہ کیا جس میں کرن جوہر ’بیئر‘ لینے امریش پوری کے اسٹور جاتے ہیں اور ناکام ہوکر لوٹتے ہیں اور شاہ رخ خان ان کے سر پر مارتے ہیں۔

فلمساز روہت شیٹھی امریش پوری بنے، کرن جوہر نے اپنا ہی کردار اور پریانکا چوپڑا نے شاہ رخ خان کا کردار کیا ہے۔

اس سین کے دوران کرن کو اسی انداز میں پریانکا نے تھپڑ مارا جس انداز میں فلم میں شاہ رخ خان نے کرن کو مارا تھا۔

اداکارہ پریانکا نے اس موقع پر کہا کہ جب انہوں نے پہلی بار فلم دیکھی تھی تب سے ہی وہ کرن کو ایسے مارنا چاہتی تھیں جس پر سب نے زوردار قہقہہ لگایا۔

یاد رہے کہ کرن جوہر اور روہت شیٹھی کا شو ’انڈیاز نیکسٹ سپر اسٹار‘ جنوری میں آن ایئر ہوگا۔

رجنی کانت کی فلموں کے بعد حقیقی سیاست میں بھی انٹری

بھارت کے سپر اسٹار اداکار رجنی کانت نے فلموں میں سیاست کی شعبدہ بازیاں دکھانے کے بعد اب حقیقی سیاست میں بھی انٹری دینے کا اعلان کردیا۔

65 سالہ جنوبی بھارت کے سپر اسٹار اداکار نے سال 2017 کے آخری دن تمام قیاس آرائیوں کا خاتمہ کرتے ہوئے اعلان کیا کہ وہ ریاست تامل ناڈو کے آئندہ عام انتخابات سے قبل اپنی نئی پارٹی کا قیام عمل میں لائیں گے۔

بھارتی خبر رساں ادارے ’ایشین نیوز انٹرنیشنل‘ (اے این آئی) کے مطابق جنوبی ہندوستان کی اہم ترین ریاست تامل ناڈو کے اداکار نے اپنے مداحوں سے خطاب کے دوران اعلان کیا کہ وہ آئندہ ریاستی انتخابات میں تمام 234 سیٹوں پر اپنے امیدوار کھڑے کریں گے۔

جنوبی ہندوستان میں مقامی زبان میں ’تھلائیو‘ یعنی باس کا درجہ رکھنے والے رجنی کانت نے چنئی کے راگھویندر کلیان منڈپم میں عوام سے خطاب کے دوران کہا کہ ان کی پارٹی کا منشور ’سچائی، کام اور ترقی‘ کے گرد ہوگا۔

فلموں میں اپنے مخالفین کو بری شکست سے دوچار کرنے والے سپر اسٹار نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ وہ تاخیر کیے بغیر حقیقی طور پر سیاست میں انٹری دیں۔

کئی سال سے یہ قیاس آرائیاں کی جا رہی تھیں کہ وہ سیاست میں انٹری دیں گے—فوٹو: اے پی
کئی سال سے یہ قیاس آرائیاں کی جا رہی تھیں کہ وہ سیاست میں انٹری دیں گے—فوٹو: اے پی

ان کا کہنا تھا کہ اگر اس وقت بھی انہوں نے تامل ناڈو کی سیاست میں انٹری نہیں دی تو وہ ہمیشہ خود پر ملامت کرتے رہیں گے۔

رجنی کانت نے تامل ناڈو کے مقابلے بھارت کی دیگر ریاستوں کو سیاسی و ترقی کے اعتبار سے بہتر قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہاں جمہوریت کے نام پر تماشہ لگایا گیا ہے، لوگوں کو ان کے اپنے وسائل پر بھی حقوق نہیں دیے جا رہے۔

سپر اسٹار کا کہنا تھا کہ اب وقت آگیا ہے کہ کچھ چیزوں کو بدلا جائے، انہوں نے واضح کیا کہ وہ سیاست میں پیسے اور طاقت کے لیے نہیں آ رہے، بلکہ انہیں کچھ چیزیں ٹھیک کرنی ہیں، جس وجہ سے وہ سیاست میں انٹری دے رہے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ ان کی پارٹی لوکل انتخابات میں حصہ نہیں لے گی، البتہ بھارت کے لوک سبھا یعنی ایوان زیریں کے انتخابات میں حصہ لیا جاسکتا ہے۔

رجنی کانت نے اپنے مداحوں اور عوام کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ انہیں احساس ہے کے تامل ناڈو کے عوام انہیں کتنا چاہتے ہیں۔

خیال رہے کہ ریاست تامل ناڈو کے آئندہ عام انتخابات مئی 2021 میں طے ہیں، اس وقت وہاں ‘آل انڈیا انا دراوندہ منیترا کزاگم‘ (اے آئی اے ڈی ایم کے) کی حکومت اپنی 5 سالہ مدت پوری کر رہی ہے۔

رجنی کانت نے سیاست میں انٹری دینے کا اعلان تو کردیا، تاہم انہوں نے اپنی پارٹی کا نام یا پارٹی رہنماؤں کے حوالے سے مزید تفصیلات نہیں بتائیں۔

خیال کیا جا رہا ہے کہ وہ تامل ناڈو کے دیگر اداکاروں کو بھی اپنی پارٹی میں شامل کریں گے۔

Google Analytics Alternative