Home » 2017 » January » 04 (page 3)

Daily Archives: January 4, 2017

چین : رشوت کے الزام میں سابق افسر کو 10 سال قیدکی سزا

چین میں فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن کے سابق افسر کو ویکسین بنانے والی کمپنیوں سے رشوت کے الزام میں 10 برس قید کی سزا سنادی گئی۔

چینی اخبار کے مطابق ادارے کے سابق ڈپٹی ڈائریکٹر ین ہونگ زہنگ کو 10 برس قید اور 5 لاکھ یوآن جرمانے کی سزا سنائی گئی ہے، ان پر الزام تھا کہ انہوں نے ڈرگ ٹیسٹ پاس کرنے کے لئے رشوت لی تھی۔

قبل ازیں ملزم کی بیوی اور بیٹے کو الزام میں شامل ہونے کے تحت قید کی سزائیں سنائی گئی تھیں، انہوں نے اس اسکیم کے تحت پراپرٹی اور 5 لاکھ 10 ہزار ڈالر نقد رقم اور ہاتھی کے دانتوں سے بنائی گئی مصنوعات رشوت کے طور پر لی تھیں۔

 

چین سے برطانیہ تک مال بردار ٹرین سروس کا آغاز

بیجنگ /  لندن: چین نے اپنے مشرقی صوبے ژے جیانگ سے برطانیہ کے دارالحکومت لندن تک کے لیے مال بردار ٹرین سروس کا آغاز کر دیا ہے۔

چین کے سرکاری خبر رساں ادارے کے مطابق چین نے مشرقی صوبے ژے جیانگ سے لندن تک کے لئے مال بردار ٹرین سروس کا آغاز کر دیا ہے، یہ ٹرین ژے جیانگ کے شہر ژی وو سے 12 ہزار کلو میٹر کا فاصلہ 18 روز میں طے کر کے لندن پہنچا کرے گی، کارگو ٹرین  چین سے روانہ ہو کر قازقستان، روس، بیلاروس، پولینڈ، جرمنی، بیلجیم اور فرانس سے ہوتی ہوئی برطانیہ پہنچا کرے گی۔ چائنا ریلوے کارپوریشن کے مطابق ژی وو سے لندن تک اس چینی کارگو ٹرین سروس کا رسمی آغاز یکم جنوری سے ہوا۔

برطانیہ کے سابق وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون نے اپنے دور حکومت میں چینی سرمایہ کاروں کو لندن تک رسائی دینے کی حمایت کر کے اپنے یورپی اتحادیوں کو حیران کر دیا تھا۔ جب کہ موجودہ برطانوی وزیراعظم تھریسا مے بھی یہ کہہ چکی ہیں کہ برطانیہ اور چین کے مابین آج بھی ’سنہرے روابط‘ قائم ہیں۔ تھریسامے لندن کے یورپی یونین سے اخراج کے بعد چین کو برطانیہ میں اربوں ڈالر کی نئی سرمایہ کاری کے مواقع میسر کرنے کے لئے سر توڑ کوششیں کر رہی ہیں۔

اسرائیلی وزیر اعظم پیرس کانفرنس سےپریشان

اسرائیلی وزیر اعظم اسرائیل فلسطین تنازع کے حل کے لیے 15 جنوری کوپیرس میں ہونے والی کانفرنس سے پریشان ہیں ۔ ان کا کہنا ہے کہ اس سے کچھ حا صل نہیں ہو گا۔

غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو نے ایک اجلاس سے خطاب میں کہا کہ پیرس میں ہونے والی کانفرنس سے کچھ حاصل نہیں ہوگاتاہم ایسا لگتا ہے کہ کانفرنس کا مقصد سیکورٹی کونسل کی قرارداد کے روشنی میں اسرائیل کے خلاف اقدامات کو آگے بڑھانا ہے ۔

اسرائیلی وزیراعظم کا کہنا تھا کہ اس وقت ہماری تمام سیاسی اور سفارتی کوشش یہ ہے کہ سلامتی کونسل میں اسرائیل کے خلاف کسی نئی قرارداد کو پیش ہونے سے روکنا ہے ۔

ترک حکومت نے ایمرجنسی میں مزید 90 روز کی توسیع کردی

 انقرہ: ترکی کی پارلیمنٹ نے ملک میں کشیدہ صورت حال کے پیش نظر ایمرجنسی میں مزید 90 روز کی توسیع کردی۔

ترک پارلیمنٹ نے نیو ایئر کے موقع پر نائٹ کلب میں فائرنگ کے واقعہ کے بعد ملک میں جاری ہنگامی صورت حال میں مزید 3 ماہ کی توسیع کردی۔ پارلیمنٹ نے ملک میں ہنگامی صورت حال میں اضافے کی سمری منظور بھی کر لی ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ برس ترکی میں ہونے والی فوجی بغاوت کی ناکام کوشش کے بعد ملک میں ہنگامی حالت نافذ کی گئی تھی اور پارلیمنٹ پہلے ہی ایک مرتبہ ہنگامی حالت میں توسیع کر چکی ہے جس کی مدت 17 جنوری کو ختم ہو رہی ہے۔

استنبول حملہ: شہری پر الزامات کی تحقیقات کررہے ہیں، کرغزستان

ملکی انٹیلی جنس ادارے نیشنل سیکورٹی کمیٹی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ وہ حملے میں اپنے شہری کے ملوث ہونے کے حوالے سے تحقیقات کررہے ہیں، انہوں نے بتایا کہ تفتیش کار اپنے ترک ہم منصبوں سےرابطے میں ہیں، انہوں نے مزید بتایا کہ حکام نے ترکی سے وطن واپس لوٹنے والے ایک 28 سالہ نوجوان کو گرفتار کرلیا ہے۔

ترک میڈیا نے رپورٹ کیا تھا کہ یہ نوجوان مشتبہ طور پر حملے میں شامل تھا، ان کا کہنا تھا کہ انٹیلی جنس حکام نے مشتبہ شخص کو علاقائی بیورو منتقل کردیا ہے جہاں اس سے تفتیش جاری ہے۔

آصف زرداری کی ڈاکٹرعاصم سے ملاقات

کراچی: سابق صدر آصف علی زرداری نے ڈاکٹرعاصم حسین سے ملاقات کی اور ان کی صحت یابی کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔

سابق صدر آصف علی زرداری نے کراچی کے ادارہ برائے امراض قلب کا دورہ کیا اور پیپلزپارٹی کراچی ڈویژن کے صدرڈاکٹر عاصم حسین سے ملاقات کی اور ان کی خیریت بھی دریافت کی۔ آصف علی زرداری کی لندن سے دوبارہ وطن واپسی کے بعد ڈاکٹر عاصم سے یہ دوسری ملاقات ہے۔

واضح رہے کہ ڈاکٹر عاصم کے خلاف دہشت گروں کے علاج معالجے کی سہولت فراہم کرنے سمیت مالی بے ضابطگیوں اور اختیارات کے ناجائز استعمال کے مقدمات زیرسماعت ہیں۔

سی پیک پرآصف زرداری کی خدمات کو نظرانداز نہیں کیا جاسکتا، مولا بخش چانڈیو

کراچی: مشیر اطلاعات سندھ مولا بخش چانڈیو کا کہنا ہے کہ سی پیک کی بات کرتے ہیں تو حکمرانوں کو آصف زرداری کیوں یاد نہیں آئے کیونکہ سی پیک پر ان کی خدمات کو نظرانداز نہیں کیا جاسکتا۔

کراچی میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے مشیر اطلاعات سندھ مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ سی پیک پرآصف زرداری کی خدمات کو نظرانداز نہیں کیا جاسکتا، گوادر پراجیکٹ معمولی نہیں یہ آصف زرداری کے دور میں شروع  ہوا جب کہ سی پیک پر ہم سب فخر کرتے ہیں اور اس منصوبے کے لیے دعاگو ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سی پیک پورے پاکستان کی بھلائی کا پروگرام ہے جب کہ سندھ میں بھی سی پیک سے متعلق بہت سے منصوبےشروع  ہورہے ہیں اور منصوبے سے سندھ میں بھی بہت ترقی آئے گی۔

مولا بخش چانڈیو کا کہنا تھا کہ پاک چائنہ دوستی کے سنگ میل ذوالفقارعلی بھٹو ہیں، پاکستانی قوم چین سے محبت کرتی ہے اور پاک چین دوستی کوئی اجنبی بات نہیں لیکن سی پیک کی بات کرتے ہیں تو حکمرانوں کو آصف زرداری کیوں یاد نہیں آئے۔ انہوں نے کہا کہ ایسے پروجیکٹ ہوتے ہیں جن کی بنیاد کوئی رکھتا ہے اور افتتاح کوئی کرتا ہے، آصف زرداری نے بتایا کہ سی پیک کے دائرے میں 36 ممالک آئیں گے۔

پاناما پیپرز کیس کی سماعت روزانہ کرنے کا فیصلہ

نعیم بخاری کی طرف سے وزیر اعظم کو نااہل قرار دینے کی استدعا پر جسٹس کھوسہ نے کہا کہ صادق اور امین کی ہم سے ایسی تشریح نا کرا دیں کہ ملک میں کوئی الیکشن ہی نا لڑ سکے۔

سپریم کورٹ کے سینئر ترین جج جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں جسٹس اعجاز افضل خان، جسٹس گلزار احمد، جسٹس شیخ عظمت سعید اور جسٹس اعجاز الاحسن پر مشتمل سپریم کورٹ کے پانچ رکنی بنچ نے سماعت کی ۔

تحریک انصاف کے وکیل نعیم بخاری نے اپنے دلائل میں کہا کہ وزیر اعظم نواز شریف کی خاندانی کاروبار پر تقاریر میں مؤقف کی تردید ان کے بچوں کے مؤقف سے سامنے آئی۔

جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہا کہ منی ٹریل کا نہیں بتایا جارہا، وزیر اعظم کے وکیل مخدوم علی خان کل تک بتائیں کہ نواز شریف کب کب وزیر، وزیر اعلیٰ اور وزیر اعظم رہے اور کب ملک سے باہر گئے۔

جسٹس آصف کھوسہ نے کہا کہ وزیر اعظم نے 1997 میں کہا کہ بزنس سے الگ ہو رہا ہوں، وہ سیاست بھی کرتے رہے اور بزنس بھی کرتے رہے۔انہوں نے ریمارکس دیے کہ سوال مفادات کے تضاد کا تو نہیں کہ جب جب نواز شریف نے عہدہ سنبھالا تب تب ان کے بزنس معاملات آگے بڑھے۔

تحریک انصاف کے وکیل نعیم بخاری نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ نواز شریف کے بچوں اور والد کے تحائف کے درمیان ٹیکس چوری ہے۔

نعیم بخاری نے کہا کہ کہ فلیٹ نمبر 17 اے 7 مئی 1993 کو خریدا گیا۔

جسٹس اعجازالحسن نے استفسار کیا کہ فلیٹ کس نے خریدا؟

نعیم بخاری نے کہا کہ فلیٹ آف شور کمپنی نیسکول نے خریدا۔

جسٹس اعجازالحسن کے اس استفسار پر کہ کیا ایسی کوئی دستاویز ہے کہ 1993 میں نیسکول کمپنی حسین نواز کی ملکیت تھی؟ نعیم بخاری ایڈووکیٹ نے کہا کہ پورے کیس میں یہی ایک راز کی بات ہے۔

جسٹس آصف سعید کھوسہ نے ریمارکس دیے کہ بخاری صاحب نیلسن اور نیسکول آف شور کمپنیوں کی 2006 سے پہلے کی ملکیت ،آپ نے ثابت کرنی ہے۔

نعیم بخاری نے دلائل میں کہا کہ مریم نواز آج بھی اپنے والد کے زیر کفالت ہیں۔

دوران سماعت عدالت نے ریمارکس دیے کہ کسی کو بینچ کی ساخت پر اعتراض نہیں تو میڈیا سے مخاطب ہونے کے بجائے عدالت سے مخاطب ہوا جائے۔

ایک موقع پر جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہا کہ میڈیا ججوں کے ریمارکس ،آبزرویشن اور سوالات کو ان کی ذاتی سوچ سے تعبیر نہ کریں۔ججوں کے سوالات کا مقصد وکلا سے اندر کی باتیں نکلوانے یا کیس کے مرکزی نکتے تک پہنچنے کے لئے ہوتے ہیں۔

جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہا کہ ہمارے سوالات کی بنیاد پر بحث اور مباحثے نہیں ہونےچاہئیں۔ہم کسی پر قدغن نہیں لگا سکتے ۔ پروگرام ضرور ہوں لیکن ہمارے سوالات اور آبزرویشن پر نہ ہوں۔

جسٹس کھوسہ نے کہا کہ ہمارے سوالات اور آبزرویشن پر میڈیا پر ٹھاہ ٹھاہ کی آواز کے ساتھ سنایا جاتا ہے تو ہم خود ڈر جاتے ہیں۔

دوران سماعت عمران خان نے بینچ سے مخاطب ہو کر کہا کہ ہم مجبور ہو گئے ہیں ایسا کرنے پر کہ جب جوڈیشل کمیشن بنا تھا تو ہمارے خلاف حکومتی پلیٹ فارم استعمال ہوا۔

انہوں نے کہا کہ اسرائیلی وزیر اعظم سے تو وہاں کی پولیس نے براہ راست پوچھ گچھ کی۔ اپوزیشن نے تو الزام لگانے ہوتے ہیں انکوائری کرنےکے لئے ادارے موجود ہیں۔

مقدمے کے ایک درخواست گزارشیخ رشید نے کہا کہ کیس پر 18 کروڑ عوام کی نظریں ہیں، اس کو کورٹ روم سے براہ راست نشر ہونا چاہیے۔

کیس کی سماعت کے آغاز پر ہی بینچ کے سربراہ آصف سعید کھوسہ نے واضح کر دیا کہ سماعت میں کوئی غیر ضروری التوا نہیں دیا جائے گا اور مقدمے کی سماعت روزانہ کی بنیاد پر کی جائے گی،کیس کی اب مزید سماعت کل صبح ساڑھے نو بجے ہوگی۔

Google Analytics Alternative