Home » 2017 » March » 16

Daily Archives: March 16, 2017

فوجی فرٹیلائزر اور حبکو میں کول پاور پلانٹ لگانے کا معاہدہ

 اسلام آباد: فوجی فرٹیلائزر کمپنی اور حب پاور کمپنی لمیٹڈ (حبکو) کے درمیان تھر میں کوئلے سے 300 میگا واٹ بجلی پیدا کرنے والے پاور پلانٹ لگانے کا معاہدہ طے پاگیا ہے۔

گزشتہ روز ایف ایف سی بورڈ آف ڈائریکٹرز کے اجلاس میں باضابطہ طورپر یہ اعلان کیا گیا ہے کہ دونوں اداروں کے درمیان تھر میں کوئلے سے 300 میگا واٹ بجلی پیدا کرنے والے پاور پلانٹ کی تنصیب کے لیے اسٹریٹجک اشتراک ہوا ہے اور اس اشتراک کے مطابق سی پیک منصوبے کے تحت بننے والے اس پاور پلانٹ کو ایک خصوصی مقصد کے تحت قائم کی جانے والی کمپنی تھر انرجی لمیٹڈ تعمیر کرے گی۔ اس پلانٹ کے لیے کوئلہ تھر بلاک2 کی فیلڈز سے حاصل کیا جائے گا۔

ادھر حبکو کے ساتھ ہونے والے اس اشتراک کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ایف ایف سی کے چیف ایگزیکٹو اور ایم ڈی لیفٹیننٹ جنرل (ر) شفقات احمد نے کہا کہ مقامی کوئلے کے استعمال سے یہ منصوبہ ملک میں بجلی کو پوارا کرنے میں اہم سنگ میل ثابت ہوگا جو موجودہ حکومت کا ایک اہم مقصد بھی ہے۔

دوسری جانب یہ کمپنی کی جانب سے ایک طویل مدتی انویسٹمنٹ ہے جس سے ہمارے اسٹیک ہولڈرز کو بھی فائدہ ہوگا۔ ایف ایف سی اور حبکو دونوں کاروباری اداروں کو نیشنل اور انٹرنیشنل سطح پر پزیرائی حاصل ہے۔

لیفٹیننٹ جنرل (ریٹائرڈ) شفقات احمد کا مزید کہنا تھا کہ اس اشتراک سے کاروباری ترقی کی نئی راہیں کھلیں گی دونوں اداروں کی مضبوط کارکردگی اسٹیک ہولڈرز کے اعتماد میں اضافے کا سبب بنے گی۔ منصوبے پر کام شروع ہو چکا ہے جبکہ 2019 کے اختتام تک کمرشل پروڈکشن کا آغاز ہو جائے گا۔

ایل پی جی کی قیمتوں میں اضافہ

عرفان کھوکھر کے مطابق 5 لاکھ 32 ہزار میٹرک ٹن ایل پی جی درآمد کی گئی، مجموعی طور پر11 لاکھ 64 ہزار میٹرک ٹن درآمد شدہ اور مقامی ایل پی جی فروخت ہوئی، اوگرا کے خط کے بعد اس ماہ ایک بھی ایل سی نہ کھل سکی، اوگرا کے غلط اقدام سے خدشہ ہے کہ ایل پی جی کی فی کلو قیمت 400 روپے تک جا پہنچے گی۔

جمعرات کو چیئرمین ایل پی جی ایسو سی ایشن عرفان کھوکھر کا اپنے ایک بیان میں کہنا تھا کہ اوگرا کے غلط اقدام سے اسٹیک ہولڈرز کو 300 کروڑ روپے کا نقصان ہوا ہے، اوگرا قیمتوں کو فوری کنٹرول کرے، ایل پی جی کے 400 غیر معیاری کارخانوں سے سینکڑوں قیمتی جانوں کا ضیاع ہوا ہے،حکومت ایل پی جی کے غیر معیاری کارخانے فوری بند کرے، ان غیر معیاری کارخانوں سے ایک بھی جان گئی تو اوگرا کے خلاف ایف آئی آر کٹوائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ایل پی جی امپورٹ کی بندش سے جمعرات کو 5 روپے فی کلو اضافہ ہوگیا ہے، حکومت ایل پی جی کی درآمدی پالیسی واضع کرے۔

اذلان شاہ ہاکی، پاکستان ٹورنامنٹ سے باہر

چھ ممالک کی ٹیموں کے درمیان اذلان شاہ ہاکی ٹورنامنٹي 27 اپریل سے ملائشیا کے شہر ایپو میں کھیلا جائے گا۔ایونٹ کا فائنل 6 مئی کو ہوگا۔ منتظمین کے مطابق ایونٹ میں آسٹریلیا، نیوزی لینڈ، برطانیہ، جاپان، بھارت اور میزبان ملائشیا کی ٹیمیں شامل ہیں۔

ذرائع کے مطابق پاکستان ہاکی فیڈریشن نے ایشین ہاکی فیڈریشن کو خط لکھا ہے، جس میں اس سے درخواست کی ہے کی وہ پاکستان ٹیم کو اذلان شاہ ٹورنامنٹ میں شامل کروانے میں اپنا کردار ادا کرے ۔

پی ایچ ایف نے موقف اختیار کیا ہے کہ پاکستان شروع سے اذلان شاہ ٹورنامنٹ کھیلتا آ رہا ہے۔ اس لیے اسے ایونٹ میں شامل کیا جائے ۔ گزشتہ سال ہونے والے اذلان شاہ ٹورنامنٹ میں پاکستان کی سات ٹیموں میں پانچویں پوزیشن تھی ۔

پی سی بی کا کرکٹ کرپشن تحقیقات کا دائرہ کار لندن تک بڑھانے کا فیصلہ

لاہور: پی سی بی نے کرکٹ کرپشن کی تحقیقات کے دائرہ کار کو لندن تک بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے پی ایس ایل میں میچ فکسنگ کیس سامنے آنے کے بعد کرکٹ کرپشن کی تحقیقات کے دائرہ کار کو لندن تک بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ذرائع کے مطابق پی سی بی کے جی ایم لیگل سلمان نصیر نے انگلینڈ کے ویزے کی درخواست دے دی ہے، سلمان نصیر انگلینڈ پہنچنے پر وہاں موجود سابق ٹیسٹ کرکٹر ناصر جمشید سے ملاقات کریں گے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ناصر جمشید کا پاسپورٹ لندن پولیس لے چکی ہے اسی لیے وہ پاکستان واپس نہیں آسکتے۔

واضح رہے کہ پاکستان سپر لیگ میں اسپاٹ فکسنگ کے الزام میں معطل کرکٹر شرجیل خان، خالد لطیف اور محمد عرفان کو پی سی بی چارج شیٹ جاری کرچکا ہے جب کہ شاہ زیب حسن نے بھی بکی سے رابطوں کا انکشاف کیا ہے۔

ایف آئی اےکے شرجیل، ناصر، خالد ،عرفان کو نوٹس جاری

وزارت داخلہ کے ترجمان کے مطابق ایف آئی اے نے یہ نوٹس اسپاٹ فکسنگ کیس کی تحقیقات کے لیے جاری کیےہیں اور کھلاڑیوں کو ہدایت کی ہے کہ 20 اور21 مارچ کو پیش ہوکر اپنے بیانات قلم بند کرائیں۔

ترجمان کا یہ بھی کہنا ہے کہ ایف آئی اے کی تحقیقات پاکستان کرکٹ بورڈ کی باضابطہ درخواست پر کی جا رہی ہیں۔

بنگلا دیش میں بجلی کی قیمت میں اضافے کے خلاف عوام سراپا احتجاج

ڈھاکا: بنگلا دیش میں بجلی کی قیمت میں اضافے کے خلاف احتجاج اس وقت پرتشدد ہو گیا جب پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے لاٹھی چارج اور واٹر کینن کا استعمال کیا۔ 

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق بنگلا دیش کے دارالحکومت ڈھاکا میں بجلی کی قیمت میں اضافے کے خلاف احتجاج کیا جا رہا تھا کہ پولیس کی جانب سے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے لاٹھی چارج اور واٹر کینن کا استعمال کیا گیا جس پر مظاہرین مشتعل ہو گئے اورپولیس پر پتھراؤ شروع کردیا۔ پولیس کی جانب سے مظاہرین پر لاٹھی چارج سے متعدد افراد زخمی بھی ہوئے جب کہ کئی افراد کو گرفتار بھی کر لیا گیا۔

فرانس کے ہائی اسکول میں فائرنگ ،2افراد زخمی

گریسے ٹاؤن ہال انتظامیہ کے مطابق فائرنگ دو طلبا کے درمیان ہونے والے جھگڑے کا شاخسانہ تھی،تاہم اس واقعے کا دہشت گردی سے تعلق نہیں ۔

دارالحکومت پیرس کے جنوبی قصبے گریسے کے ہائی اسکول میں مسلح افراد نے فائرنگ کی، فائرنگ کے بعد قصبے کے تمام اسکول بند کردیے گئے، حکومت نے ملک بھر میں الرٹ جاری کردیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ فائرنگ کو دہشت گردی کا واقعہ کہنا قبل از وقت ہے۔

امریکی عدالت نے ٹرمپ کا نیا سفری حکم نامہ بھی معطل کردیا

واشنگٹن ڈی سی: امریکی ریاست ہوائی کی مقامی عدالت نے سفری پابندیوں سے متعلق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے نئے حکم نامے کو غیر قانونی اور غیر آئینی قرار دیتے ہوئے عمل درآمد سے پہلے ہی معطل کردیا۔

اپنے نئے صدارتی حکم نامے میں ڈونلڈ ٹرمپ نے 6 مسلم ملکوں سے امریکا آنے والوں پر 90 دن کی پابندی عائد کی تھی جبکہ پناہ گزینوں کی امریکہ آمد پر 120 دن کی پابندی لگائی گئی تھی۔ اس سال جنوری میں جاری کردہ صدارتی حکم نامے کے تحت 7 مسلم ممالک سے لوگوں کی امریکا آمد پر پابندی تھی جبکہ موجودہ حکم نامے میں عراق کا نام شامل نہیں اوراس کے سوا باقی تمام مندرجات جوں کے توں ہیں۔

ڈسٹرکٹ جج ڈیرک واٹسن نے اس مقدمے میں سرکاری وکیل کے مؤقف کو مبہم قرار دیتے ہوئے پورے امریکا میں سفری پابندی کے نئے صدارتی حکم نامے پر بھی عمل روک دیا ہے۔ علاوہ ازیں ایسا ہی ایک مقدمہ امریکی ریاست میری لینڈ کی عدالت میں بھی زیرِسماعت ہے جس کے فیصلے کا اعلان جلد متوقع ہے۔

ڈسٹرکٹ جج ہوائی کے فیصلے پر شدید ردِعمل کا اظہار کرتے ہوئے ٹرمپ نے کہا کہ سفری پابندی کے خلاف فیصلہ دے کرعدالت نے اختیارات سے تجاوز کیا ہے جبکہ اس عدالتی فیصلے سے کمزور امریکا کا تاثر قائم ہوگا۔ اسی کے ساتھ امریکی صدر نے اعلان کیا کہ وہ اس عدالتی فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کریں گے۔

انہوں نے ایک بار پھر یہ دعوی کیا کہ امریکی آئین کے تحت صدر کو اختیار حاصل ہے کہ وہ ملکی مفاد میں امیگریشن معطل کرسکے۔ امریکی سلامتی اور مفاد کے بارے میں ڈونلڈ ٹرمپ کے اس مؤقف کو نہ صرف امریکی عدالتیں بلکہ امریکی قانونی ماہرین بھی کئی بار مسترد کرچکے ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ امریکی آئین میں ایسی کوئی شق موجود نہیں جو صدر کو اتنا بااختیار بناتی ہو اور یہ کہ ملکی مفاد اور قومی سلامتی کے بارے میں حتمی فیصلہ دینا فردِ واحد کی حیثیت سے صدر کے دائرہ کار سے باہر ہے۔

Skip to toolbar
Google Analytics Alternative