Home » 2017 » April » 18

Daily Archives: April 18, 2017

کرس گیل ٹی 20 میں 10 ہزار رنز بنانے والے پہلے کرکٹر بن گئے

راجکوٹ: ویسٹ انڈیز کے جارح مزاج اوپنر کرس گیل ٹی 20 کرکٹ میں 10 ہزار رنز کا سنگ میل عبور کرنے والے پہلے کرکٹر بن گئے۔

کرس گیل نے یہ کارنامہ آئی پی ایل میں رائل چیلنجرز بنگلور کی جانب سے گجرات لائنز کے خلاف میچ میں سرانجام دیا۔ کرس گیل کو ٹی 20 کرکٹ میں سب سے زیادہ 18 سنچریز اور 60 نصف سنچریز بنانے کا اعزاز بھی حاصل ہے جب کہ ٹی 20 کرکٹ کی سب سے بڑی انفرادی اننگز 175 ناٹ آﺅٹ کا ریکارڈ بھی ان کے پاس ہے۔

مختصر فارمیٹ کی تیزترین ففٹی میں وہ بھارت کے یووراج سنگھ کے شراکت دار ہیں دونوں نے 12 گیندوں پر نصف سنچری بنا رکھی ہے۔ سب سے زیادہ 736 چھکے اور 764 چوکے لگانے کا اعزاز بھی انہوں نے اپنے نام کر رکھا ہے۔

یمن میں سعودی فورسز کا ہیلی کاپٹر گرادیا گیا، 12 فوجی ہلاک

صنعا: یمن میں سعودی فورسز کا ہیلی کاپٹر گرایا دیا گیا جس میں افسران سمیت 12 فوجی ہلاک ہوگئے۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق سعودی عرب کا بلیک ہاک ہیلی کاپٹر یمن کے شہر مارب میں مار گرا دیا گیا جس سے ہیلی کاپٹر مکمل طور پر تباہ ہوگیا اور اس میں سوار 4 فوجی افسران سمیت 12 سعودی اور اتحادی فوجی مارے گئے۔

رپورٹس کے مطابق سعودی فورسز کا بلیک ہاک ہیلی کاپٹر جنگی آپریشن میں حصہ لے رہا تھا جب کہ بعض میڈیا رپورٹس میں کہا گیا ہےکہ ہیلی کاپٹر حادثاتی طور پر تباہ ہوا تاہم سعودی خبر رساں ایجنسی کا کہنا ہے کہ حادثے کی وجوہات کا ابھی تک علم نہیں ہوسکا ہے۔

مودی سرکار کے منہ زور آپے سے باہر

کشمیری نوجوان کو انسانی ڈھال بنانے پرسابق بھارتی جنرل کا دل بھی پسیج گیا، بھارتی فوج کو آئینہ دکھایا تو مودی سرکار کے حمایتی کھل کر سامنے آ گئےاورریٹائرڈ لیفٹیننٹ جنرل ایچ ایس پناگ کو مارنے پیٹنے کی دھمکی دے ڈالی۔

سری نگر میں انسانیت سوز واقعے کے بعد لیفٹیننٹ جنرل(ر) ایچ ایس پناگ نے کہا تھا کہ جتنا بھی اشتعال دلایا جا رہا تھا، بھارتی فوج کو غیر قانونی فعل کا سہارا نہیں لینا چاہئے تھا، یہ واقعہ بھارتی قوم اور بھارتی فوج کو مدتوں پریشان کرے گا۔

سابق بھارتی فوجی کے اس بیان پر زعفرانی ٹولا تلملا گیا، سوشل میڈیا پر اپنے ہی سابق فوجی کے خلاف محاذ کھول دیا، جن میں گلوکارابھیجیت بھی شامل تھے،لیکن اب بھارتی سپریم کورٹ کے سابق جج مرکھنڈے کاٹجو جنرل پناگ کے دفاع میں سامنے آ گئےہیں۔

سابق جج نے جنرل کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ غالب سے ایک بار لوگوں نے پوچھا تھا کہ آپ اپنے ناقدین کو جواب کیوں نہیں دیتے،غالب نے کہا تھا اگر گدھا آپ کو لات مارے تو کیا آپ بھی اسے لات ماریں گے؟ آپ پریشان کیوں ہوتے ہیں؟

سابق جج مرکھنڈے کاٹجو مسلمانوں کے حق میں آواز اٹھانے کے لئے مشہور ہیں،انہوں نے بالی ووڈ میں پاکستانی فنکاروں کے کام کرنے کی بھی کھل کر حمایت کی تھی۔

پاناما کیس کا فیصلہ 20 اپریل کو سنایا جائے گا

 اسلام آباد: سپریم کورٹ کی جانب سے پاناما کیس کا فیصلہ 20 اپریل کو سنایا جائے گا۔

سپریم کورٹ نے مقدمات سے متعلق ضمنی کاز لسٹ جاری کردی ہے جس کے مطابق پاناما کیس کا محفوظ فیصلہ 20 اپریل کو دوپہر 2  بجے سنایا جائے گا۔ جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 5 رکنی لارجر بینچ نے کیس کی سماعت کی، بینچ میں جسٹس اعجاز افضل خان، جسٹس گلزار احمد، جسٹس عظمت سعید اور جسٹس اعجاز الحسن شامل ہیں، لارجر بینچ نے 26 سماعتیں مکمل ہونے کے بعد 23 فروری کو کیس کا فیصلہ محفوظ کیا تھا جو اب تقریبا 2 ماہ بعد سنایا جائے گا۔

پاناما کیس میں چیرمین تحریک انصاف عمران خان نے وزیراعظم نوازشریف کی نااہلی کے لیے درخواست دائر کی تھی جس میں مؤقف اختیار کیا گیا تھا کہ وزیراعظم نوازشریف نے اپنے اثاثوں سے متعلق غلط بیانی کی ہے اور انہوں نے لندن میں فلیٹ جائیداد منی لانڈرنگ کے ذریعے خریدے جب کہ جماعت اسلامی اور شیخ رشید بھی کیس میں فریقین ہیں، سپریم کورٹ میں وکلا نے دلائل مکمل کیے تھے جس کے بعد عدالت عظمیٰ نے کیس کا فیصلہ محفوظ کرلیا تھا۔

سپریم کورٹ میں اورنج لائن ٹرین منصوبہ کیس کی سماعت کے دوران پاناما کیس کے بینچ میں شامل جسٹس اعجاز افضل نے ریمارکس دیئے تھے کہ پاناما کیس میں ایسا فیصلہ دیں گے جو صدیوں یاد رکھا جائے گا۔

علاوہ ازیں ڈائریکٹر جنرل آئی ایس پی آر کی جانب سے بھی بیان سامنے آیا تھا کہ پاک فوج بھی ہر پاکستانی کی طرح پاناما کیس کے انصاف پر مبنی فیصلے کی منتظر ہے۔

دوسری جانب پاناما کیس کے فیصلے کی تاریخ آنے کے بعد اپنے رد عمل کے اظہار میں تحریک انصاف کے رہنما نعیم الحق کا کہنا تھا کہ ہم بھی کیس کے فیصلے کے منتظر ہیں، قوم اس فیصلے کا بڑی شدت سے انتظار کررہی ہے اور یہ فیصلہ پاکستان کے عوام کے جذبات کی عکاسی کرے گا جس کے بعد کسی حکمران کو کرپشن کی جرات نہیں ہوگی۔

مسلم لیگ (ن) کے رہنما طلال چوہدری نے کہا کہ وزیراعظم نوازشریف کو استثناء حاصل تھا لیکن اس کے باوجود خود کو عدالت کے سامنے پیش کیا لہٰذا جن کا نام ہی پاناما میں نہیں ان کے خلاف فیصلہ کیسے آئے گا۔

مشال خان قتل کیس فوجی عدالت بھیجا جائے ، رحمان ملک

چیئرمین کمیٹی سینیٹر رحمان ملک کا کہنا ہے کہ مشال خان قتل کیس فوری فوجی عدالت کے حوالے کیا جائے۔

سینیٹر جاوید عباسی نے کہا کہ مشال خان کو مارنے والوں کو سخت سزا دینی چاہیے، معاملے کو لٹکانے کیلئے جوڈیشل انکوائری بنادی گئی۔

سینیٹ کمیٹی نے سوشل میڈیا پر مردان واقعے کی ویڈیو بلاک کرنے کی سفارش بھی کردی۔

چیئرمین کمیٹی کے مطابق ہجوم پراسیکیوٹر، انویسٹی گیٹر اور جلاد نہیں بن سکتا، توہین مذہب سے متعلق قانون موجود ہے اس پر عمل ہونا چاہیے، توہین مذہب کے جھوٹے الزام پر بھی وہی سزا ہونی چاہیے۔

مشال خان کے قتل میں ملوث مردان یونیورسٹی کے 7 ملازمین معطل

مردان: خان عبدالولی خان یونیورسٹی کے طالب علم مشال خان کے قتل میں ملوث یونیورسٹی کے 7 ملازمین کو معطل کردیا گیا ہے۔

خان عبدالولی خان یونیورسٹی میں مشتعل طلبا کے ہاتھوں قتل ہونے والے صحافت کے طالب علم مشال خان کے قتل میں ملوث یونیورسٹی کے 7 ملازمین کو معطل کردیا گیا۔ رجسٹرار نے 7 ملازمین کی معطلی کے احکامات جاری کرتے ہوئے ان کی تنخواہیں بھی روک لی ہیں جب کہ ان تمام افراد کو پولیس پہلے ہی حراست میں لے چکی ہے۔

معطل ہونے والوں میں افیسر خان، اجمل مایار، ناصر آفریدی، انیس، نواب خان، علی خان اور حنیف شامل ہیں۔ معطل کیے گئے ملازمین یونیورسٹی میں اسٹور کیپر، اسسٹنٹ لائبریرین اور دیگر اہم عہدوں پر تعینات تھے۔

اس سے قبل مشال خان کے قتل کے بعد کی ایک وڈیو منظرعام پر آئی تھی جس میں ملزمان مشال کو مارنے والوں کا نام نہ بتانے کا حلف لے رہے ہیں۔

واضح رہے مشال خان کے قتل میں ملوث مرکزی ملزم وجاہت نے گزشتہ روز اپنے اعترافی بیان میں واقعے کی ذمہ داری یونیورسٹی انتظامیہ پر ڈالتے ہوئے کہا تھا کہ انتظامیہ نے مشال اور ساتھیوں پر توہین رسالت کا الزام لگانے کا کہا جس پر مشال کے خلاف طلبا کو اشتعال دلایا۔

فیس بک کا مشال خان کو خراج عقیدت

فیس بک نے خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے عبدالولی خان یونی ورسٹی کے جاں بحق طالب علم مشال خان کے اکاؤنٹ کو یادگاری اکاؤنٹ کا درجہ دیدیا ہے۔

یادگاری اکاؤنٹ میں کوئی شخص لاگ ان نہیں ہوسکتا صرف لفظ ’یادگاری‘ مرحوم کی پروفائل پر اسکے نام کے اوپر لکھا ہوتا ہے۔

افغانستان میں سوویت حملہ ہمارے کہنے پر ہوا نہ نائن الیون، ناصر جنجوعہ

ان کا کہنا تھا کہ ہمارے جہاد کا نظریہ استعمال کر کے افغانستان لڑا، اس وقت افغانستان کیساتھ نہ کھڑے ہوتے توکیا آج افغانستان ہوتا؟

ناصر جنجوعہ نے اکادمی ادبیات اسلام آباد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تجارتی راستہ روس کو پیش کردیتے تو روس آج بھی افغانستان میں ہوتا، افغانستان میں خلا چھوڑ دیا گیا ،یہیں سے نائن الیون ہوا، سیاسی طور پرطالبان کو شامل نہ کرنا کیا ہمارا قصور ہے ؟ ہم افغان طالبان کیساتھ ہیں تو پاکستانی طالبان ہمارے ساتھ کیوں لڑ رہے ہیں؟

انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کےخلاف جنگ میں ہم نے جو پوزیشن لی اس نے بہت زخم دئیے، پاک افغان بارڈر کا بلند ترین مقام 24ہزار فٹ بلندہے، پاکستان اور افغانستان کی سرحد 2611 کلومیٹر طویل ہے، افغان طالبان کو پاک سر زمین استعمال کرنے سے روکنے پر وہ ہم سے لڑتے ہیں ۔

ناصر جنجوعہ کا کہنا تھا کہ افغانستان معصوم بن کر چلے جانا اور وہاں ہتھیاراٹھا لینا بہت آسان ہے ،30 لاکھ افغان پناہ گزینوں کو پاکستان میں رکھاہواہے، ان چیزوں کا ادراک نہ کرنےوالے پاکستان پر الزام لگا دیتے ہیں۔

Google Analytics Alternative