Home » 2018 » April

Monthly Archives: April 2018

حکومت نے پیٹرول ایک روپیہ 70 پیسے مہنگا کردیا

اسلام آباد: حکومت نے آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) کی پیٹرول 3 روپے 22 پیسے فی لیٹر مہنگا کرنے کی تجویز مسترد کرتے ہوئے فی لیٹر پیٹرول کی قیمت میں ایک روپیہ 70 پیسے اضافہ کردیا۔

وزارت خزانہ کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق پیٹرول کی نئی قیمت 87 روپے 70 پیسے فی لیٹر مقرر کی گئی ہے۔

ڈیزل 2 روپے 31 پیسے فی لیٹر مہنگا  ہونے کے بعد ڈیزل کی نئی قیمت 98 روپے 76 پیسے فی لیٹر تک پہنچ گئی ہے۔

مٹی کے تیل کی قیمت میں 3 روپے 41 پیسے فی لیٹر اضافہ کیا گیا ہے جس کے بعد اس کی نئی قیمت 79 روپے 87 پیسے فی لیٹر ہوگئی ہے۔

لائٹ ڈیزل آئل کی قیمت فی لیٹر 3 روپے 55 پیسے اضافے کے بعد 68 روپے 85 پیسے ہوگئی۔

نئی قیمتوں کا اطلاق رات 12 بجے ہوجائے گا۔

 آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا)  نے یکم مئی سے پیٹرول 3 روپے 22 پیسے اور ڈیزل 5 روپے 2 پیسے فی لیٹر مہنگا کرنے کی سمری پیٹرولیم ڈویژن کو بھیجی تھی۔

سمری میں پیٹرول 3 روپے 22 پیسے، ڈیزل 5 روپے 2 پیسے، مٹی کا تیل 6 روپے 97 پیسے اور لائٹ ڈیزل آئل 6 روپے 95 پیسے فی لیٹر مہنگا کرنے کی سفارش کی گئی تھی۔

خیال رہے کہ اوگرا نے گزشتہ ماہ اپریل کے لئے پیٹرول کی قیمت میں 5 روپے 26 پیسے کمی کرنے کی سفارش کی تھی تاہم حکومت نے 2 روپے 7 پیسے کمی کی تھی۔

جانئے آج آپ کا دن کیسا رہے گا

حمل:
21مارچ تا21اپریل

گھریلو حالات متاثر ہو سکتے ہیں، آپ انتہائی تحمل و حوصلہ کے ساتھ حالات پر قابو پانے کی کوشش کریں تاکہ صورت حال زیادہ نہ بگڑ سکے،  الجھے ہوئے مسائل کا حل خودبخود نکل آئے گا۔

ثور:
22اپریل تا20مئی

اب بھی اگر آپ ٹھنڈے دل و دماغ کے ساتھ کوشش کریں تو حالات قدرے بدل سکتے ہیں، یقینا آپ بھی موجودہ حالات سے مطمئن نہیں ہیں لہٰذا اپنے الجھے ہوئے مسائل صلح و صفائی کے ذریعے حل کریں۔

جوزا:
21مئی تا21جون

غیر ملکی سفر کے سلسلے میں پڑی ہوئی رکاوٹ کا خاتمہ کسی دوست یا رشتہ دار کی خصوصی مدد وغیرہ کے سبب ہو سکتا ہے، اگر کاروبار مشترکہ ہے تو پھر شریک کار پر ضرورت سے زیادہ بھروسہ نہ کریں۔

سرطان:
22جون تا23جولائی

بزرگان روحانی سے خصوصی فیض حاصل ہو سکتا ہے بعض الجھے ہوئے امور ان کی مدد کے سبب حل ہو سکتے ہیں، اولاد کے سلسلے میں خوشی حاصل ہو سکتی ہے آپ اپنی مرضی سے ان کا رشتہ طے کر سکیں گے۔

اسد:
24جولائی تا23اگست

محبت کے معاملات  بہتر ثابت ہو سکتے ہیں، کسی نئے کاروبار کا آغاز ہرگز نہ کریں، کوئی شخص کسی بھی سلسلے میں آپ سے رقمی مدد طلب کر سکتا ہے لہٰذا انہیں صاف جواب دے دینا ہی بہتر ثابت ہو سکتا ہے۔

سنبلہ:
24اگست تا23ستمبر

مشترکہ بزنس میں کامیابی کا امکان زیادہ ہے، اگر نیا کاروبار کرنا چاہتے ہیں تو پھر ایسا کام کریں جس میں بھاگ دوڑ نہ کرنی پڑے لیکن ضروری ہے کہ اس میں آپ کا عمل دخل زیادہ ہو۔

میزان:
24ستمبر تا23اکتوبر

اس میں کوئی شک نہیں کہ آپ کے شریک حیات آپ کو بہت زیادہ چاہتے ہیں لیکن آپ اس حقیقت کو کیوں فراموش کردیتے ہیں کہ پھولوں کے ساتھ ساتھ کانٹے بھی ہوتے ہیں۔

عقرب:
24اکتوبر تا22نومبر

حالات کا اندازہ کرتے ہوئے کوئی ایسا لائحہ عمل مرتب کیجئے جس پر کسی کو بھی اعتراض کرنے کا موقعہ نہ مل سکے، اس بات کی تائید تو ہم بھی کر سکتے ہیں کہ آپ کے شریک حیات آپ کو بہت چاہتے ہیں۔

قوس:
23نومبر تا22دسمبر

کسی صاحب حیثیت مقتدر شخصیت کے ساتھ تعلقات قائم ہو سکتے ہیں اگر اس قسم کے تعلقات پہلے ہی سے استوار ہو چکے ہیں تو پھر یہ مضبوطی اختیار کر سکتے ہیں، اس سے آپ کی توقعات پوری ہو سکتی ہیں۔

جدی:
23دسمبر تا20جنوری

مخالفین بھی آپ کو پریشان کرنے کی غرض سے نئے ہتھکنڈے بروئے کار لاسکتے ہیں۔ اگر آپ نے پیش آمدہ حالات سے خوف زدہ ہو کر ہمت نہ ہاری تو پھر مخالف اپنے ہی جال میں الجھ سکتا ہے۔

دلو:
21جنوری تا19فروری

آپ اپنی ذاتی صلاحیتوں سے کام لے کر دیگر فریقین کو اطمینان دلا دیں ۔اور جس راہ پر آپ اب تک گامزن رہے تھے اسے چھوڑ دیں۔ بس یہ ہی آپ کی نجات کی آخری صورت ہے۔

حوت:
20 فروری تا 20 مارچ

بعض اوقات آپ نے اپنی دور اندیشانہ پالیسیوں کے تحت مختلف امور کے سلسلے میں ناقابل یقین کامیابیاں حاصل کی ہیں لیکن ہر بار ایسا تو نہیں ہو سکتا، کبھی کبھار سیر کو سوا سیر بھی مل جاتا ہے۔

قوم کے لیے خون کے آخری قطرے تک لڑوں گا، عمران خان

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے پاکستان میں تبدیلی کے لیے اپنے 11 نکات پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ میں قوم کے لیے خون کے آخری قطرے تک لڑوں گا۔

مینار پاکستان لاہور میں جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ماضی میں پاکستان کی بیرون ممالک عزت تھی، ایوب کے دور میں پاکستان کو عزت سے دیکھا جاتا تھا لیکن آج اس ملک کے وزیراعظم کو امریکا کے صدر کے ساتھ بات کرنے کی ہمت نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ علامہ اقبال نے ہمارے لیے ایک خواب دیکھا تھا اور انھوں نے کہا کہ یہ ریاست ایک لیبارٹری ہوگی۔

انھوں نے کہا کہ قائد اعظم نے کانگریس کی چال کو سمجھتے ہوئے مسلمانوں کے لیے ایک الگ ملک کا مطالبہ کیا اور جدوجہد کی۔

اپنی تقریر کے دوران ان کا کہنا تھا کہ یہ مسلم لیگ (ن) والے کہتے ہیں میں لاڈلا ہوں دراصل میں اپنی ماں کا لاڈلا تھا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ ملک تباہی کی طرف جارہا ہے، ہم قرض واپس کرنے کے لیے قرض لے رہے ہیں جبکہ نائجیریا کے بعد پاکستان واحد ملک ہے جہاں سب سے زیادہ بچے اسکول نہیں جاتے۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے اپنے گیارہ نکات پیش کرتے ہوئے کہا کہ پہلا تعلیم اور دوسرا صحت ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ شوکت خانم ہسپتال کو دو روز قبل عالمی طرز کے ہسپتال کا سرٹیفکیٹ مل گیا۔

اپنے 11 نکات پیش کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ تیسرا کام میں اپنی قوم سے پیسہ جمع کر کے دکھاوں گا اور کسی سے قرضہ لینے کی ضرورت نہیں پڑے گی۔

عمران خان نے کہا کہ میں کرپشن کو روکنے کے لیے نیب کو مضبوط کروں گا، عدالتوں اور دیگر اداروں کو مضبوط کروں گا اور اس کی مثال بھی سامنے ہے کہ ہم نے 20 اراکین اسمبلی کو نکال دیا ہے، سینیٹ کے انتخابات میں اس سے پہلے بھی کرپشن ہوتی رہی ہے لیکن کسی نے پہلی نہیں کی۔

انھوں نے پارٹی سے نکالے گئے اراکین صوبائی اسمبلی کے حوالے سے کہا کہ ان کے حوالے سے ہمارے پاس ویڈیو ہے جہاں وہ پیسے لے رہے ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ منی لانڈرنگ کو روکیں گے اور بیرون ملک سے پیسہ واپس لائیں گے اور تعلیم پر خرچ کریں گے۔

پانچویں نکتے کے حوالے سے انھوں نے کہا کہ ہم سرمایہ کاری لے کر آئیں گے جس کے نتیجے میں بے روزگاری میں کمی آئے گی۔

عمران خان نے 11 نکات میں چھٹے نمبر پر روزگار کو شامل کیا اور کہا کہ 50 لاکھ گھر بنائیں گے جس کے حوالے سے تفصیلات بعد میں بتائیں گے، اور ٹیکنیکل تعلیم بھی دیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ اللہ نے خوب صورت ملک دیا ہے اور سب سے آسان کام سیاحت میں روزگار نکالنا ہے اس لیے ہر سال چار نئے مقامات کھولیں گے اور پورے ملک کو سیاحوں کا مرکز بنائیں گے۔

آٹھواں نکتہ زراعت میں اصلاحات ہوں گی کیونکہ کسان کی کسی کو فکر نہیں ہے حالانکہ وہ پورے سال محنت سے کام کرتا ہے اور خاص کر شوگر مل مافیا نے نقصان پہنچایا ہوا ہے لیکن میں جلد اس مافیا کو نہیں چھوڑیں گے۔

عمران نے کہا کہ ہم فیڈریشن کو مضبوط کریں گے اور سارے صوبوں کو ان کے حقوق دیں گے اور آتے ہی جنوبی پنجاب صوبہ انتظامی سطح پر اعلان کریں گے اور فاٹا کو خیبر پختونخوا کو فوری طور پر ضم کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ فاٹا میں جو نقصانات ہوئے ہیں وہ پورے کریں گے اور زیادہ سے زیادہ ترقیاتی فنڈز دیں۔

انھوں نے کہا کہ سارے پاکستان میں بلدیاتی نظام لائیں گے اور میئر کا انتخاب بھی براہ راست ہوگا اور فنڈ اراکین اسمبلی کے بجائے ان نمائندوں کو دیں گے۔

عمران خان نے کہا کہ ماحولیات میں کام کریں گے اور آلودگی کے خاتمے کے لیے کام کریں گے، دریاوں کو صاف کرنے کے منصوبے بنائیں گے۔

انھوں نے کہا کہ میرٹ لے کر آئیں گے اور پولیس میں اصلاحات لائیں گے اور پولیس کو غیرسیاسی کریں گے اور ایک دن لوگ کہیں گے کہ پنجاب پولیس زندہ باد۔

پی ٹی آئی چیئرمین نے کہا کہ کے پی میں چیف جسٹس کے ساتھ مل کر فیصلہ کیا ہے کہ سول کیس ایک سال سے زیادہ نہیں جائے گا، کے پی میں ریٹائرڈ جج، فوجی اور بیوروکریٹ بیٹھ کر فوری فیصلے کرتے ہیں وہی نظام پورے پاکستان میں لائیں گے۔

اپنا آخری نکتہ پیش کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ خواتین کے لیے تعلیم دیں گے اور اسکول بنائیں گے کیونکہ ماں پڑھی لکھی ہوتی ہے تو سارا گھر پڑھا لکھا ہوتا ہے اور ہر نئے تین اسکولوں میں دو بچیوں کے لیے ہوں گے اور ہر 100 کالجوں میں سے 70 کالج لڑکیوں کے لیے ہوں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ عورتوں کو قانونی تحفظ دینا ہے جس کے لیے ہم نے کے پی میں خواتین کے پولیس اسٹیشن کھولے ہیں اسی طرح پولیس اسٹیشن بنائیں گے اور قانون کے ذریعے خواتین کو جائیداد کے اندر حق دلائیں گے۔

عمران خان نے آخر میں تمام پاکستانیوں کو پیغام دیتے ہوئے کہا کہ آپ جو چاہیں بن سکتے ہیں اس لیے بڑا خواب دیکھیں اور اپنے ملک کا سوچیں اور بڑے لوگ بنیں کیونکہ ایک عظیم خواب کا نام پاکستان ہے۔

عمران خان ہی ملک کے وزیراعظم ہوں گے، چوہدری سرور

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے سینیٹر چوہدری محمد سرور نے کہا ہے کہ حکومت کے بجائے عوام کی خدمت کو اپنا مقصد قرار دیتے ہوئے کہا کہ اگلا وزیراعظم عمران خان ہوں گے۔

لاہور میں جلسے سے خطاب کے دوران ان کا کہنا تھا کہ ہمارا مقصد حکومت حاصل کرنا نہیں ہے بلکہ عوام کی خدمت کرنا ہے اگر مقصد حکومت کرنا ہوتا تو پنجاب کے گورنر کے عہدے سے استعفیٰ نہیں دیتا۔

انھوں نے کہا کہ ہم ایک نئے پاکستان کی بنیاد رکھ رہے ہیں، ہمیں ایسا پاکستان چاہیے جہاں انصاف سب کے لیے برابر ہو۔

رہنما پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ عمران خان کے پاکستان میں ساری طاقت بلدیاتی اداروں کے پاس ہوگی۔

پی ٹی آئی کی رہنما شیریں مزاری کا کہنا تھا کہ نواز شریف اور ان کی حکومت نے نہ صرف پاکستان کا نقصان کیا بلکہ دنیا میں پاکستان کے موقف نقصان پہنچایا۔

ان کا کہنا تھا کہ کشمیر میں بھارتی فوج معصوم عوام کو شہید کررہی ہے لیکن یہ ان کے ساتھ دوستی کر رہے تھے۔

لاہور جاگتا ہے تو قوم جاگتی ہے، شیخ رشید

عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے اپنے خطاب میں کہا کہ جب لاہور سوجاتا ہے تو قوم سوجاتی ہے لیکن آج قوم جاگ اٹھی ہے۔

انھوں نے کہا کہ میں عمران خان کے ساتھ اس لیے ہوں کیوں کہ میں تبدیلی چاہتا ہوں، یہ دھوکے باز لوگ ووٹ کے دن تک شریف ہیں، چار سال میں 35 ارب ڈالر قرضہ لیا گیا۔

ان کاکہنا تھا کہ لوگ پوچھتے ہیں شیخ رشید تمھارا بھی ایک کیس اس کا کیابنا فیصلہ جوبھی ہو میں حق کا ساتھ دوں گا۔

شیخ رشید نے کہا کہ چیف جسٹس ثاقب نثار کو عوام کے سمندر میں سلام پیش کرتا ہوں وہ جہاد کررہے ہیں۔

وفاقی حکومت پر تنقید کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ پاکستان کی معیشیت ڈیفالٹ ہونے کے قریب ہے، حکومت نے 4 سالوں میں 35 ارب کا قرضہ لیا گیا۔

انھوں نے پی ٹی آئی کو کامیاب جلسے پر مبارک باد دی۔

اسلام آباد: امریکی سفارتکار کی گاڑی کی ٹکر سے 2 موٹرسائیکل سوار زخمی

اسلام آباد: وفاقی دارالحکومت میں امریکی سفارتکار کی گاڑی کی ٹکر سے 2 موٹرسائیکل سوار زخمی ہوگئے جنہیں پمز اسپتال منتقل کردیا گیا۔

ذرائع کے مطابق حادثہ رات 9 بجکر40 منٹ پر شاہراہ دستور پر سیکریٹریٹ چوک پرپیش آیا اور گاڑی امریکی سفارت خانے کا سیکنڈ سیکریٹری چاڈ ریکس چلا رہا تھا۔

ذرائع کے مطابق گاڑی کی ٹکرسے زخمی 1 نوجوان نزاکت اسلم گڑھی دوپٹہ آزاد کشمیر کا رہائشی ہے۔

اس حوالے سے اسلام آباد کے ایس ایس پی آپریشنز نجیب الرحمان نے جیو سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ امریکی سفارتخانے کی گاڑی نے 2 موٹر سائیکل سواروں کو ٹکر ماری۔

ایس ایس پی نے مزید بتایا کہ امریکی سفارتخانے کی گاڑی کو ڈرائیورسمیت تھانا سیکریٹریٹ منتقل کردیا گیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ زخمی افراد کو پمز اسپتال منتقل کردیا گیا جن کی حالت خطرے سے باہر ہے۔ ایس ایس پی نجیب الرحمان نے بتایا کہ واقے کا جائزہ لے رہے ہیں او ٹریفک پولیس سے بھی معاونت لی جارہی ہے۔

ایس ایس پی آپریشنز کے مطابق واقعے کے ذمے داروں کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی ہوگی، وزارت خارجہ کو سفارتی اہلکار کی تحریری تصدیق کا کہا ہے، وزارت خارجہ کی تحریری تصدیق کے بغیر سفارتی اہلکار کو رہا نہیں کریں گے۔

ذرائع کے مطابق سفارتکاروں کے ایسے واقعات سے متعلق پولیس نے ایس او پی مرتب کرلیا ہے جس کے تحت وزارت خارجہ کی تصدیق کے بغیر سفارتی دستاویز تسلیم نہیں کیا جائے گا۔

ترجمان پمز اسپتال کے مطابق زخمی ہونے والے نزاکت اور محمد وسیم کو ابتدائی طبی امداد دے دی گئی ہے اور دونوں زخمیوں کی حالت خطرے سے باہر ہے۔

ترجمان پمز کے مطابق نزاکت کو سر پر اور محمد وسیم کو اندرونی چوٹ آئی ہے۔

خیال رہے کہ 8 اپریل کو بھی اسلام آباد میں امریکی سفارتکار کی گاڑی کی ٹکر سے ایک شخص جاں بحق اور ایک زخمی ہوگیا تھا۔

جاں بحق ہونے والے شخص کی شناخت عتیق کے نام سے ہوئی تھی اور جبکہ جس گاڑی کی ٹکر سے وہ ہلاک ہوا وہ امریکی ڈیفنس اینڈ ایئر اتاشی کرنل جوزف ایمانوئل ہال کی تھی۔

عمران خان اور بانی ایم کیو ایم ایک دوسرے کا عکس ہیں، بلاول بھٹو

 کراچی کے ضلع وسطی میں پیپلز پارٹی نے  44 برس بعد جلسہ منعقد کیا جس سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین پیپلز پارٹی نے پہلے ایم کیو ایم، پھر تحریک انصاف اور پھر حکمراں جماعت پاکستان مسلم لیگ (ن) پر سخت تنقید کی۔

بلاول بھٹو نے اپنے خطاب میں کہا کہ کراچی کو مستقل قومی مصیبت کے ہر دھڑے سے آزاد کرایا جائے گا، لیاقت آباد میں پہلے نفرت کانعرہ لگایا جاتاتھا، میرے سامنے ان لوگوں کی تصاویر ہیں جنہوں نے شہادت دی۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ ہزاروں شہداء نے ظلم کی فضا میں پیپلز پارٹی کا پرچم تھامے رکھا، پیپلزپارٹی کے ہزاروں شہداء کے لیے نعرہ لگاتا ہوں، یہ وہ کراچی ہے جہاں میں پیدا ہوا‘۔

انہوں نے کہا کہ کراچی میرا گھر ہے، یہ میری سانسوں میں بستا ہے، میری ایک پہچان کراچی شہر بھی ہے۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ’پہلے مرحلے میں کراچی میں امن قائم کیا ہے، دوسرے مرحلے میں کراچی کو مستقل قومی مصیبت سے نجات دلائیں گے‘۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ ’کراچی میں 35 سالوں میں جو ہوا وہ آپ سب کے سامنے ہے، کراچی میں خون اور دہشتگردی تھی، کراچی کا مسئلہ وہی حل کرسکتا ہے جو یہاں پیدا ہوا ہو‘۔

کراچی والوں کے مینڈیٹ پر بندوق کی زور پر قبضہ کیا گیا، بلاول

جلسہ گاہ روانگی سے قبل آصفہ بھٹو زرداری نے اپنے بھائی بلاول کو امام ضامن باندھا — فوٹو: پیپلز پارٹی ٹوئٹر

انہوں نے کہا کہ ’کراچی کی گلیوں سے پیپلزپارٹی کی قیادت نکلی، کراچی والوں کے مینڈیٹ پر بندوق کی زور پر قبضہ کیا گیا، لیکن بھٹو نے کراچی سے محبت کا سلسلہ ترک نہیں کیا، کچھ لوگوں کو کراچی اور بھٹو کا رشتہ پسند نہیں آیا‘۔

 بلاول بھٹو نے کہا کہ ’شہر قائد میں نفرت کے بیچ بوئے گئے، نسلی بنیادوں پر لڑائیاں کرائی گئیں، طاقت کے زور پر پیپلز پارٹی کی طاقت ختم کی گئی، کراچی سے پی پی کو ختم کرنے کے لئے ہزاروں جیالوں کوقتل کیا گیا، گھروں میں گھس کر جیالوں کو گولیاں ماری گئیں، لیکن مخالفین دیکھ لیں، ہم فنا نہیں ہوئے، ہم وہ ہیں جو اپنی راکھ سے دوبارہ پیدا ہوتے ہیں‘۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے مزید کہا کہ ’ آج تیسری نسل کا بھٹو آپ کے سامنے کھڑا ہے، کراچی میں بے امنی مجھے پسند نہیں تھی، کراچی میں ہمارے لوگ جل اور مر رہے تھے، ہم نے الزام کی بجائے کراچی میں امن قائم کیا‘۔

 بلاول بھٹو نے کہا کہ کراچی میں آپریشن کے کپتان وزیراعلیٰ سندھ تھے لیکن جب کراچی میں امن آگیا تو تو ہر کوئی فتح کا جھنڈا لہرا رہا ہے۔

دہشتگردوں کےسامنے سب کے سر جھکے تھے لیکن پیپلز پارٹی ڈٹ گئی، بلاول

جلسے سے خطاب میں بلاول نے مزید کہا کہ ’یہ پیپلز پارٹی تھی جس نے بلاتفریق آپریشن کی کمان کی، دہشتگردوں کےسامنے سب کے سر جھکے تھے لیکن پیپلز پارٹی ڈٹ گئی‘۔

انہوں نے کہا کہ ’پولیس میں سیاسی بھرتیوں کو ختم کرنا ہوگا، پیپلز پارٹی ٹارگٹ کلرز کی جماعت نہیں ہے، ہم سیکٹر کمانڈر سے پارٹی نہیں چلاتے، ہم نے لندن سے بیٹھ کر شہر نہیں چلایا‘۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ ’وہ سیاست اور سسٹم ہی غلط ہے جس نے بانی ایم کیو ایم کو پیدا کیا، کراچی کے نوجوانوں کا استحصال نہیں کیا جاسکتا، ٹارگٹ کلنگ سے ہزاروں لوگوں کو قتل کیا گیا‘۔

انہوں نے کہا کہ ’مستقل امن قائم کرنے لئے مستقل جمہوریت کی ضرورت ہے، ایسی عدلیہ اور پولیس کی ضرورت ہے جس پر لوگ بھروسہ کریں‘۔

مستقل قومی مصیبت نے کراچی والوں کو کچھ نہیں دیا، بلاول

بلاول بھٹو زرداری نے ایم کیو ایم پر نام لیے بغیر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ’مستقل قومی مصبیت نے کراچی والوں کو کچھ نہیں دیا، مشرف کے دور میں ایم کیو ایم ایک مافیا کی طرح کراچی پر قابض تھی، انہوں نے اس دور میں پانی کے منصوبے مکمل کیوں نہیں کیے؟‘

انہوں نے کہا کہ ’ہمارے احتجاج کے باوجود انہوں نے کے الیکٹرک کی نجکاری کی، ایم کیو ایم کہتی ہے ووٹ ہمیں دو گالیاں پیپلز پارٹی کو دو، جو ووٹ لیتا ہے کام کرنا اس کی ذمے داری ہوتی ہے‘۔

انہوں نے کراچی کے عوام سے اپیل کی کہ وہ پیپلز پارٹی کو ووٹ دیں اور اگر وہ ایسا کریں گے تو کراچی کے گٹروں میں بوریاں ڈال کر ایم کیو ایم کی طرح کوئی بند نہیں کرےگا، کوئی واٹر سپلائی کی لائن کے سوراخ بند نہیں کرےگا۔

بلاول نے کہا کہ ’کراچی کو فیصلہ کرنا ہوگا کہ ان کا دشمن کون ہے، میں جانتا ہوں کہ کراچی میں مسائل کے انبار ہیں، کراچی 107 ممالک سے بڑا شہر ہے، پانی، بجلی اور ٹرانسپورٹ سمیت بڑے مسائل ہیں‘۔

انہوں نے مزید کہا کہ ’جانتے ہو اس شہر میں صفائی میں کون رکاوٹ ہے، مستقل قومی مصیبت شہر کو صاف نہیں دیکھنا چاہتے، ایم کیو ایم کی سیاست کچرے پر ٹکی ہوئی ہے، عوام انھیں ووٹ دیں جو مسائل حل کرسکے‘۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ’فاروق ستار کہتے ہیں میئر کو 5 ارب روپے کا حساب دینا ہے، میئر کے پاس اختیار نہیں یہ سب جھوٹ ہے، کوئی حساب مانگتا ہے تو میئر صاحب اختیارات کارونا روتے ہیں، میئر صاحب! جب آپ جیل میں تھے تو میں ہی تھا جس نے آواز اٹھائی‘۔

عمران خان اور بانی ایم کیو ایم ایک دوسرے کا عکس ہیں، بلاول

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ کراچی میں جب سے امن آیا ہے ہر کوئی مینڈٹ پر قبضہ کرنا چاہتا ہے، بہت مشکل سے کراچی کو بانی ایم کیو ایم سے نجات ملی ہے اب اس پر کسی اور کو قابض نہیں ہونے دیں گے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ ’پی ٹی آئی شہر میں نفرت پھیلانا چاہتی ہے، ہم بانی ایم کیو ایم کی طرح عمران خان کو بھی نہیں چاہتے، عمران اور بانی ایم کیو ایم ایک دوسرے کا عکس ہیں، ایک ہڑتال کرتا ہے تو دوسرا دھرنا دیتا ہے، ایک تقریر پر معافی مانگتا ہے تو دوسرا یوٹرن لیتا ہے‘۔

انہوں نے کہا کہ ’عمران خان نے اعلان کیا کہ وہ کراچی سے الیکشن لڑیں گے، پہلے لندن، اب بنی گالا سے کراچی چلانے کے خواب دیکھےجارہے ہیں، خان صاحب ! آپ کیا لوگوں کو بے وقوف سمجھتے ہیں؟‘

عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے بلاول نے کہا کہ ’پی ٹی آئی بلوچستان کےصدر پر خون کے الزامات ہیں، نیا پاکستان کہاں سے بنے گا؟ نیا پاکستان بنا نہ سکے،اب کہتے ہیں دو نہیں ایک پاکستان چاہیے‘۔

انہوں نے کہا کہ ’5 سالوں میں کے پی کے میں ایک سرکاری اسپتال نہ بناسکے،کے پی کے وزیر اعلیٰ پر کرپشن کا الزام لگا،آپ نےوزراء کو معطل کر دیا‘۔

نواز شریف نے بھی کراچی والوں سے بڑے بڑے وعدے کیے، بلاول

سابق وزیراعظم نواز شریف پر تنقید کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ ’نواز شریف نے بھی کراچی والوں سے بڑے بڑے وعدے کیے، لیکن وفاق سے ایک گرین لائن منصوبہ مکمل نہ ہوسکا‘۔

آخر میں بلاول بھٹو نے کراچی کے عوام سے اپیل کی کہ وہ اب کی بار اپنے مینڈٹ کو تقسیم نہ ہونے دیں۔

انہوں نے کہا کہ ’عوام میرے ساتھ ہیں تو اس شہر کی قسمت بدل دوں گا، میں عوام کو مفت تعلیم اور روزگار دوں گا، میں کراچی میں صنعتیں بحال کروں گا، میں کراچی والوں کی پیاس بجھاؤں گا‘۔

ن لیگ نے کارپوریٹ بجٹ پیش کیا، پیپلز پارٹی اسے رد کرتی ہے، رضا ربانی

جلسے سے خطاب میں سابق چیئرمین سینیٹ رضا ربانی نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے کارکنوں کو گلیوں میں مارا جاتا تھا، ہم نے صبر کے ساتھ کارکنوں کی لاشیں اٹھائیں لیکن شہر کی روشنوں کو ہم نے ختم نہیں ہونے دیا۔

رضا ربانی نے کہا کہ موجودہ مسلم لیگی حکومت نے عوام دشمن بجٹ دیا ہے، یہ بجٹ موٹے موٹے پیٹ رکھنے والے تاجروں کا بجٹ ہے، یہ بجٹ کارپوریٹ بجٹ ہے، پیپلز پارٹی اسے رد کرتی ہے۔

رہنما پیپلز پارٹی نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے ہمیشہ جدوجہد کی ہے اور اب بھی جدوجہد کرےگی۔

رضا ربانی نے کہا کہ ’کوئی کہتا ہے میں تبدیلی لارہا ہوں، کونسی اور کیسی تبدیلی لارہےہو؟غریبوں کی قسمت تبدیلی سے نہیں بدلتی، تبدیلی اس وقت آتی ہے جب غریبوں کا انقلاب برپا ہوتا ہے‘۔

انہوں نے کہا کہ ’موجودہ حکومت سرمایہ داروں کی حکومت ہے، موجودہ حکومت نے کراچی اور سندھ کا کبھی نہیں سوچا‘۔

عوام کی خدمت عمران خان کا کام نہیں،خدمت صرف بھٹو والے کرسکتے ہیں، مراد علی شاہ

جلسے سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا کہ کراچی میں تمام ترقیاتی کام پیپلزپارٹی کی حکومت میں ہوئے۔

مراد علی شاہ نے کہا کہ کراچی کے شہری پیپلز پارٹی کا ساتھ دیں ہم مزید خدمت کریں گے۔

انہوں نے پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ’عمران خان کو کہتا ہوں کہ کرکٹر ہو کرکٹ کھیلو، عوام کی خدمت عمران خان کا کام نہیں ہے، عوام کی خدمت صرف بھٹو والے کرسکتے ہیں‘۔

وفاقی حکومت پر تنقید کرتے ہوئے مراد علی شاہ نے کہا کہ ’یہ کہتے ہیں کہ بجٹ میں کراچی کے لیے 25 ارب روپے رکھے گئے، بجٹ کی پوری کتاب میں کہیں 25 ارب روپےنہیں ملے، بجٹ میں کراچی کیلئے صرف5 ارب روپے رکھے گئے، 5 ارب روپے تو ہم دو دن میں ختم کرلیں گے‘۔

سابق وزیراعظم نواز شریف پر تنقید کرتے ہوئے مراد علی شاہ نے کہا کہ ’ نواز شریف تم ایک دن بھی کراچی میں نہیں ٹھہرے، نواز شریف کا دل کراچی والوں کے ساتھ نہیں دھڑکتا‘۔

جلسے کے انتظامات

لیاقت آباد کے ٹنکی گراؤنڈ میں جلسے میں شرکت کیلئے بڑی تعداد میں کارکن پہنچے جہاں قائدین کے بیٹھنے کے لئے 120 فٹ لمبا اور 40 فٹ چوڑا اسٹیج تیار کیا گیا تھا۔

جلسے سے پارٹی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کو شام 6 بجے خطاب کرنا تھا تاہم ان کے خطاب میں تاخیر ہوئی اور اس دوران شیری رحمان، وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ اور دیگر رہنماؤں نے اپنے خطاب سے کارکنوں کا لہو گرمایا۔

قبل ازیں پیپلز پارٹی کے رہنما سعید غنی نے جلسہ گاہ میں انتظامات کا جائزہ لیا جس کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا تھا کہ یہ جلسہ کراچی کے سیاسی مستقبل کے لیے اہم ہے۔

سعید غنی نے کہا کہ ایم کیوایم نے کراچی کو تباہ کر دیا لیکن آج لوگ متحدہ کے خوف سے آزاد ہوچکے ہیں اور ان کے رہنما روزانہ پی پی پی میں شمولیت اختیار کر رہے ہیں۔

سیکیورٹی انتظامات

جلسے کی سیکیورٹی کیلئے سیکیورٹی اہلکاروں سمیت ایک ہزار سے زائد پیپلز پارٹی کے رضاکار مامور تھے۔

علاوہ ازیں پنڈال کے اندر ایس ایس یو کے اہلکار تعینات کیے گئے تھے جب کہ ضلع وسطی کے 1400 پولیس اہلکار و افسران نے بھی سیکیورٹی خدمات انجام دیے۔

افسران میں ایک ایس ایس پی، 4 ایس پیز اور 9 ڈی ایس پیز شامل تھے، 100 لیڈی سرچرز بھی سیکیورٹی کے فرائض سرانجام دے رہی تھیں۔

جلسے میں شرکت کے لیے ایف سی گرؤانڈ سمیت 6 مختلف مقامات کو پارکنگ کے لیے مختص کیا گیا تھا جہاں 100 پولیس موبائلیں علاقے کے گشت پر مامور تھیں۔

نوازشریف کی سیاست ختم ہوگئی، شیخ رشید

لاہور: عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کا کہنا ہے کہ نواز شریف کی سیاست ختم ہوگئی شہباز شریف ٹھس ہوچکے ہیں۔

لاہور میں مینار پاکستان پر تحریک انصاف کے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ اس جلسے پر پی ٹی آئی رہنماؤں کو مبارک باد دیتا ہوں جب کہ لاہور والے پاکستان کا جوش جذبہ، ہمت اور طاقت ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سیاست میں غلطیاں ہوجاتی ہیں لیکن عمران خان کا دامن صاف ہے، پورے ملک میں عمران خان کی حمایت کا اعلان کرتا ہوں، اگر انتخاب ہوئے تو عوامی مسلم لیگ لڑے گی، میں غریب کی تبدیلی چاہتا ہوں۔

شیخ رشید نے کہا کہ پاکستان کی فوج اور عدلیہ ہر محاذ پر لڑ رہی ہے، ان کا مقصد ہے پاکستان کی فوج کو اور اس کے وقار کو نیست و نابود کیا جائے جب کہ ثاقب نثار جہاد کررہے ہیں سارے ملک میں صرف ایک چیف جسٹس ہی کام کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نوازشریف کی سیاست ختم ہوگئی ہے، شہبازشریف ٹھس ہوچکے ہیں۔

عوامی مسلم لیگ کے سربراہ نے کہا کہ ملک میں پانی، بجلی اور گیس نہیں ہے نوجوانوں کے  پاس نوکری نہیں ہے، موٹر وے اور گرین لائن عوام کی جیب سے نکلتی ہیں اور وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کا پتہ نہیں کہاں سے مفتہ لگ گیا ہے۔

حکومت ایم ایم اے کے حوالے کردو کرپشن ختم ہوجائے گی، مولانا فضل الرحمان

مردان: متحدہ مجلس عمل اور جمعیت علمائے اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ مغرب کے ایجنڈے کو پاکستان میں نافذ ہونے نہیں دیا جائے گا۔

مردان میں متحدہ مجلس عمل کی دوبارہ بحالی کے بعد پہلے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ اقوام متحدہ کو کشمیر اور افغانستان کے مرنے والے لوگ نظر نہیں آرہے، اقوام متحدہ کی چھتری کے نیچے شام میں انسانیت کا قتل عام ہورہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ امریکا قوموں کی آزادی چھین کر امن کے نام پر انسانیت کا خون کررہا ہے اور دنیا بھر میں انسانیت کا خون کیا جارہا ہے۔

کمزور نظام حکومت ملک کو ترقی نہیں دے سکتا، فضل الرحمان

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ آج کل پاکستان میں کہا جاتا ہے کہ یہ چور ہے وہ چور ہے، اس کا آسان فارمولا ہے، حکومت ایم ایم اے کے حوالےکردو، کرپشن ختم ہوجائے گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ ملک میں کچھ پتا نہیں حکومت کس کی ہے، حکمران عدالتوں میں کھڑے ہیں، کمزور نظام حکومت ملک کو ترقی نہیں دے سکتا۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان بین الاقوامی دباؤ میں ہے، ہماری سیاست و پارلیمنٹ بین الاقوامی دباؤ میں رہتی ہے اور ملک میں قانون سازی بھی بین الاقوامی دباؤ میں آکر کی جاتی ہے۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ پاکستان اسلام کے نام پر بنا ہے لیکن ملک میں 70 سال سے سود کا کاروبار جاری ہے تاہم ہم مغرب کے ایجنڈے کو پاکستان میں نافذ نہیں ہونے دیں گے۔

ان کا کہنا ہے کہ آج بندوق اور تلوار کی جگہ ووٹ نے لے لی ہے، عوام کا ووٹ تلوار بھی ہے اور بندوق بھی، اسی لیے ووٹ کی پرچی کو حق کے لیے استعمال کریں گے  تو حق ملے گا۔

انہوں نے کہا کہ 13 مئی کو پورے پاکستان سے لوگ مینار پاکستان پر جمع ہوں گے جس میں قوم کو پاکستان کی اساس یاد دلائیں گے اور دنیا کو بتائیں گے کہ قرارداد پاکستان کو کیسے عملی جامہ پہنایا جاتا ہے۔

ایم ایم اے سیاسی اور اخلاقی کرپشن کا خاتمہ کرے گی، سراج الحق

امیر جماعت اسلامی سراج الحق — فوٹو: جیو نیوز اسکرین گریب

اس سے قبل جلسے سے خطاب کرتے ہوئے ایم ایم اے کے مرکزی نائب صدر و امیر جماعت اسلامی سراج الحق کا کہنا تھا کہ آج ساری دینی جماعتوں کی قیادت ایک مرکز پر جمع ہوگئی ہے لیکن ہم پر یہ اعتراض کیا گیا کہ علماء اور مشائخ کیوں اکٹھے ہوئے، اب ہم اکٹھے ہوں تو اعتراض ہوتا ہے اور الگ ہوں تب بھی اعتراض ہوتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے ابھی قدم نہیں اٹھائے اور ان کے رنگ پیلے ہوگئے ہیں لیکن اب ہم ایک ہوگئے ہیں تو اسلامی نظام کا نفاذ کوئی نہیں روک سکتا۔

ان کا کہنا تھا کہ ’میرا جسم میری‘ مرضی کا کلچر تحریک پاکستان اور قائد اعظم کے وژن سے غداری ہے، ملک میں فحاشی برداشت نہیں کر سکتے۔

سراج الحق کا کہنا تھا کہ پاناما لیکس اور نیب میں کسی عالم کا نام شامل نہیں اور کرپشن فری پاکستان صرف ایم ایم اے بنا سکتی ہے لہذا ایم ایم اے اقتدار میں آکر سیاسی اور اخلاقی کرپشن کا خاتمہ کرے گی۔

85 فیصد نوجوان اسلامی نظام چاہتے ہیں، سراج الحق

سراج الحق نے کہا کہ پاکستان کے 85 فیصد نوجوان اسلامی نظام چاہتے ہیں، ہماری سیاست امریکا کی نہیں مدینہ منورہ کی ہے اور ہم کسی صورت قانون ناموس رسالت سے چھیڑ چھاڑ کو قبول نہیں کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ دودھ تب ملاوٹ سے پاک ہوگا جب سیاست کرپشن سے پاک ہوگی جب کہ ہماری لڑائی کسی فرد کے ساتھ نہیں بلکہ اس نظام کے خلاف ہے، ایسا نظام نہیں چاہتے جس میں غریب کے بچے کچرے کے ڈھیر میں رزق تلاش کریں۔

امیر جماعت اسلامی کا کہنا تھا کہ ہمیں ایسا بیمار نیب نہیں چاہیے جس کے ہاتھ بڑوں تک نہیں پہنچتے بلکہ ایسا نیب چاہیے جو انصاف و عدل پر فیصلہ کرے۔

غلطی سے سرحد پار کرکے پاکستان آنے والا بھارتی شہری بی ایس ایف کے حوالے

راولپنڈی: غلطی سے سرحد پارکرکے پاکستان آنے والے بھارتی شہری کو پاک رینجرز  نے بھارت کے حوالے کردیا ہے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق پاک رینجرز پنجاب نے غلطی سے سرحد پارکرکے پاکستان آنے والے بھارتی شہری کو بی ایس ایف کے حوالے کردیا ہے۔ 23 سالہ بھارتی شہری دلوندر سنگھ گزشتہ برس 6 مارچ  کو قصور کے قریب پاک بھارت سرحد عبور کرکے پاکستانی حدود میں آگیا تھا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق  قانونی عمل کے بعد پنجاب رینجرز نے واہگہ بارڈر پر دلوندرسنگھ کو بھارتی حکام کے حوالے کیا، اس موقع پر دلوندر سنگھ نے پاکستان میں قیام کے دوران اچھی میزبانی اور  وطن واپس بھجوانے پرپاکستانی سیکیورٹی حکام کا شکریہ ادا کیا۔

Google Analytics Alternative