Home » 2018 » May » 01

Daily Archives: May 1, 2018

شب برأت آج عقیدت و احترام کے ساتھ منائی جائے گی

ملک بھر میں شب برأت آج مذہبی عقیدت و احترام کے ساتھ منائی جارہی ہے جس کے لیے مساجد میں عبادت کیلئے خصوصی انتظامات بھی کئے گئے ہیں۔

شب برأت کی مناسبت سے مساجد میں عبادات اور نوافل کی ادائیگی کا اہتمام کیا گیا ہے اور خصوصی دعائیں بھی کی جارہی ہیں۔

بڑی تعداد میں لوگ قبرستان کا رخ کررہے ہیں اور اپنے پیاروں کی قبروں پر پھول چڑھانے کے ساتھ ساتھ ان کی مغفرت کیلئے فاتحہ خوانی بھی کررہے ہیں۔

مساجد اور محلے کو چراغوں سے روشن کیا گیا ہے اور نذر و نیاز کا بھی خصوصی اہتمام کیا گیا۔

ملک بھر میں پولیس حکام کی جانب سے سیکیورٹی انتظامات سخت کیے گئے ہیں اور آتش بازی پر پابندی عائد کی گئی ہے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ پابندی کی خلاف کرنے والے کو فوری طور پر گرفتار کرلیا جائے گا۔

مزدوروں کا عالمی دن: پاکستان کے مزدور اپنا حق حاصل کرنے میں ناکام

عالمی سطح پر مزدوروں اور محنت کشوں کے حقوق اور ان کی ہمت افزائی کے لیے منائے جانے والے مزدوروں کے عالمی دن کے موقع پر پاکستان میں بیشتر مزدور اپنا حق حاصل کرنے میں ناکام ہیں۔

پاکستان سمیت دنیا بھر میں بروز منگل مزدوروں کا عالمی دن منایا گیا، جس کے لیے ملکی سطح پر چھٹی کا اعلان کیا گیا، تاہم جن لوگوں کے نام پر عام تعطیل کا اعلان کیا گیا وہ چھٹی کے اپنے اس بنیادی حق کے حوالے سے بھی لاعلم ہیں۔

ملک بھر کا مزدور طبقہ صبح سویرے ہی اپنے پیٹ کی آگ بجھانے کے لیے اپنے کام کاج پر نکل پڑا اور پورے دن شدید گرمی میں کام کرتے نظر آئے۔

خیال رہے کہ امریکا کے شہر شکاگو سے مزدوروں کے حقوق کے لیے جنم لینے والی تحریک پوری دنیا میں جاری ہے لیکن پاکستان میں مزدور اپنے اس عالمی دن کے حوالے سے بے خبر ہیں۔

مزدور طبقہ مایوس ہے کہ بڑے بڑے دعوے کرنے والے سیاسی رہنما ان کی یومیہ اجرت مختص کرنے کے حوالے سے کچھ نہیں کر سکے تو وہ مزدوروں کو ان کے حقوق کیسے دلوائیں گے۔

مزدور طبقے کا کہنا تھا کہ ایک مزدور کو اس کے اور اس کے گھر والوں کے لیے 2 وقت کی روٹی مل جائے یہ ہی کافی ہے کیونکہ حکومت کی مقرہ کردہ تنخواہ نہیں ملتی۔

ادھر لسبیلہ یونیورسٹی آف ایگریکلچرل میں مزدوروں کے عالمی دن کے موقع پر پلمبر، ڈرائیورز، جنریٹر آپریٹرز اور مالی کے سوا پورے عملے کو چھٹی دی گئی۔

یاد رہے کہ یکم مئی کو ہر سال شکاگو کے مزدوروں کی ہلاکت کے نام سے منسوب کرکے اسے مزدوروں کے عالمی دن کے طور پر تو منایا جاتا ہے لیکن یہ دن نہ تو مزدوروں کو ان کے حقوق دلواسکا اور نہ ہی انہیں معاشی تحفظ فراہم کرسکا۔

اس حوالے سے ایک مزدور کا کہنا تھا کہ ’حکومت ہر سال مزدوروں کا عالمی دن تو مناتی ہے لیکن ملک کی کوئی بھی حکومت مزدوروں کے لیے کچھ نہیں کرسکی، اور اس کا ثبوت یہ ہے کہ میرے والد مزدوری کیا کرتے تھے اور آج میں بھی وہی کام کرتا ہوں، جس سے حاصؒ ہونے والی رقم سے شام کو بڑی مشکل سے ہمارے گھر کا چولہا جلتا ہے‘۔

مزدوروں نے مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے یہ بھی کہا کہ اگر وہ ایک دن کی چھٹی کر لیں تو ان کے گھر کا چولہا کیسے چلے گا؟

جانئے آج آپ کا دن کیسا رہے گا

حمل:

21مارچ تا21اپریل

تعمیراتی منصوبے کو بے خوف عملی شکل دیجئے، نتائج توقع کے مطابق نکل سکتے ہیں، کامیابی آپ کے ہمراہ چلے گی لیکن شرط یہ ہے کہ آپ کسی بھی موقعہ پر ہمت نہ ہاریں۔

ثور:
22اپریل تا20مئی

کوئی شک نہیں کہ آپ کے یہ جذبات قابل قدر ہیں، اگر آپ ہزار سال قبل پیدا ہوتے تو شاید آپ کے یہ اعلیٰ کارنامے تاریخ کے کسی صفحے پر درج ہو جاتے لیکن اب تو ایسا ہونے کی امید نہیں رکھی جا سکتی۔

جوزا:
21مئی تا21جون

یہ عرصہ آپ کے لیے بعض امور کے سلسلے میں خاصا بہتر ثابت ہو سکتا ہے لہٰذا پوری توقع اور ہمت کے ساتھ آگے بڑھنے کی جدوجہد کرتے رہیں، بسلسلہ تعلیم کامیابی ہو سکتی ہے۔

سرطان:
22جون تا23جولائی

چند اہم کاموں میں آپ نے حیران کن کامیابی حاصل کی ان کامیابیوں کے پیچھے ہمارے ان مشوروں کا کس قدر ہاتھ ہے جو کہ آپ کو ہم نے دیے تھے، اس کا بہتر اندازہ آپ ہی لگا سکتے ہیں۔

اسد:
24جولائی تا23اگست

آپ کے نام نہاد دوست آپ کیخلاف سازش کر سکتے ہیں، بہرحال آپ کو اتنا اندازہ تو ہو ہی چکا ہو گا کہ برے وقت میں کوئی ساتھ نہیں دیتا، بلند و بانگ دعویٰ کرنیوالے رشتہ دار بھی قریب آنے سے گریز کرینگے۔

سنبلہ:
24اگست تا23ستمبر

کسی بھی شخص کے ساتھ الجھنے کی غلطی نہ کریں اگر آپ خود پر قابو نہ پا کر کسی سے الجھ بیٹھیں تو پھر بات بہت بڑھ سکتی ہے، آپ کے اخراجات بھی بڑھ سکتے ہیں۔

میزان:
24ستمبر تا23اکتوبر

اپنے غصے کو دباتے رہئے کیونکہ یہی ایک چیز آپ کے لیے کسی بھی وقت انتہائی پریشانی کا باعث بن سکتے ہیں، زیادہ دوست نہ بنایئے دوستی آپ کو حسب سابق راس نہ آ سکے گی۔

عقرب:
24اکتوبر تا22نومبر

جائیداد کے مسائل میں بہت زیادہ دلچسپی نہ لیں ان کا سردست حل ہونا ناممکن ہے ایسے لوگ جن پر آپ ضرورت سے زیادہ بھروسہ کرتے رہے ہیں وہ آپ کے خلاف سازش کر سکتے ہیں۔

قوس:
23نومبر تا22دسمبر

ایسے بااثر افراد سے بھی تعلقات قائم ہو سکتے ہیں جن کی وجہ سے آپ اپنے کاروبار کو غیر معمولی وسعت دے سکیں گے، سیاسی و سماجی کارکن بھی اگر کوشش کریں تو انھیں اپنا مطلوبہ مقام حاصل ہو سکتا ہے۔

جدی:
23دسمبر تا20جنوری

گھریلو زندگی کو خوشگوار بنانے کے سلسلے میں بھی یہ عرصہ آپ کیلیے بہت اہم ثابت ہو سکتا ہے، اس امر کا زیادہ امکان ہے کہ شریک زندگی وہی فریق بن جائے جسے آپ پسند کرتے ہیں۔

دلو:
21جنوری تا19فروری

اگر آپ نے گزشتہ پیش آنے والے واقعات سے کوئی سبق حاصل کر لیا ہے تو پھر توقع یہی ہے کہ آپ غلطیوں کا اعادہ نہیں کریں گے ظاہر ہے کہ اگر غلطیاں نہ ہوئیں تو حالات بھی پریشان کن نہیں رہیں گے۔

حوت:
20 فروری تا 20 مارچ

غیر ملکی سفر کا چانس مل سکتا ہے لیکن اس چانس سے استفادہ نہ کرنا ہی آپ کے لیے مناسب ہو سکتا ہے حالات خواہ کسی بھی قسم کے ہوں آپ پورے اعتماد اور حوصلے کے ساتھ ان کا مقابلہ کریں۔

نواز شریف نے ہمیشہ ہمیں اسٹیبلشمنٹ سے لڑا کر خود ہاتھ ملا لیا، آصف زرداری

لاہور: پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف زرداری نے کہا ہے کہ نواز شریف نے ہمیشہ ہمیں اسٹیبلشمنٹ سے لڑا کر خود ہاتھ ملا لیا اور ان کی ایسی ہی چال میں آکر اینٹ سے اینٹ والا بیان دیا تھا۔

پیپلز پارٹی کے اہم ذرائع نے بتایا ہے کہ آصف زرداری اور نواز شریف کے درمیان دوریاں کیسے ہوئیں، اس کا راز خود پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین نے ہی کھول دیا ہے، انہوں نے سینیئر پارٹی قائدین اور بااعتماد صحافیوں کے سامنے حال دل بیان کر دیا ہے۔

آصف زرداری کا کہنا تھا کہ نواز شریف اپنے قریبی افسر کے ذریعے مجھے مختلف پیغام بھجواتے رہے، ہم نواز شریف کو جتنا بھولا سمجھتے ہیں وہ اس سے کہیں زیادہ موقع پرست ہیں، ہم سویلین بالادستی کی نیت سے نواز شریف کی ہاں میں ہاں ملاتے رہے، ہم سیاست اور نواز شریف تجارت کرتے رہے، نواز شریف نے ہمیں ہر موقع پر بیچا، میں سیاست سے ہٹ کر نواز شریف سے سماجی تعلقات رکھنا چاہ رہا تھا لیکن انہوں نے میری نیک نیتی کا ناجائز فائدہ اٹھایا۔

آصف زرداری کا کہنا تھا کہ نواز شریف نے ہر موقع پر ہمیں اسٹیبلشمنٹ سے لڑا کر خود ہاتھ ملا لیا، پرویز مشرف کے مواخذے سے لے کر اینٹ سے اینٹ کے بیان تک نواز شریف نے ہاتھ کرایا، میں نے پریوز مشرف کے مواخذے کا اعلان کیا تو نواز شریف نے پیچھے ہٹ گئے، انہوں نے پرویز مشرف کے مواخذے میں ساتھ دینے کے لئے شرائط عائد کردی تھیں۔

پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین کا کہنا تھا کہ نواز شریف نے پرویز مشرف پر غداری کا مقدمہ بنایا تو ہم نے ان کا ساتھ دیا، نواز شریف نے اپنے قریبی افسر کے ذریعے یقین دلوایا کہ وہ پرویز مشرف کو جانے نہیں دیں گے، میں نے یقین کر لیا اور بلے کو جانے نہ دینے کا بیان دیا مگر نواز شریف نے پرویز مشرف کو باہر بھجوا دیا، بعد میں پتہ چلا کہ نواز شریف جب مجھے یقین دلا رہے تھے اس سے پہلے ہی وہ پرویز مشرف کے معاملے پر ڈیل کر چکے تھے۔

آصف زرداری کا کہنا تھا کہ نواز شریف نے میرے اینٹ والے بیان کا فائدہ اٹھاتے ہوئے راحیل شریف سے معاملات سیدھے کرنے کی کوشش کی، سندھ میں نیب اور دیگر اداروں کے ذریعے کارروایاں بھی نواز شریف کے کہنے پر ہوئیں، وہ اپنا کیا خود بھگتیں، میں اب کسی صورت اس سے ہاتھ نہیں ملاؤں گا۔

میشا شفیع کا شوہر کے ہمراہ کینیڈا شفٹ ہونے کا فیصلہ

لاہور: میشا شفیع اور ان کے شوہر محمود رحمان نے کینیڈا میں مستقل طور شفٹ ہونے کا فیصلہ کرلیا۔

معروف گلوکارہ و اداکارہ میشا شفیع نے مستقل طور پر کینیڈا میں مستقل رہائش اختیارکرنے کا فیصلہ کیا ہے، اس سلسلہ میں انہوں نے تمام تر تیاریاں مکمل کرلی ہیں جب کہ ان کے بچوں کو کینیڈین حکومت نے پی آر کارڈ بھی جاری کردیئے ہیں جس کے بعد کینیڈا میں 2 سال 9 ماہ گزارنے کے بعد میشا شفیع اور ان کے شوہر کو بھی کینیڈین شہریت مل جائے گی۔

واضح ہو کہ چند روز قبل میشا شفیع نے گلوکار و اداکار علی ظفر پر جنسی زیادتی کا الزام عائد کیا تھا تاہم علی ظفر نے اس الزام کو مسترد کرتے ہوئے گلوکارہ کو قانونی نوٹس بھی بھجوایا تھا۔

چوہدری نثار کا قومی اور صوبائی اسمبلی کے 3 حلقوں سے الیکشن لڑنے کا اعلان

راولپنڈی: سابق وزیرِ داخلہ چوہدری نثار نے قومی اسمبلی کے حلقہ 59 جبکہ صوبائی اسمبلی کے پی پی 10 اور 14 سے الیکشن میں حصہ لینے کا اعلان کردیا ہے۔

سابق وزیرداخلہ اور مسلم لیگ (ن) کے رہنما چوہدری نثار نے آئندہ عام انتخابات میں حصہ لینے کے لئے قومی و صوبائی حلقے منتخب کرلئے ہیں۔ چوہدری نثار سے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 59 کی 27 یونین کونسل کے چیئرمینز اور وائس چیئرمینز نے ملاقات کی۔

اس موقع پر سابق وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ قومی اسمبلی کے حلقہ 59 اور صوبائی اسمبلی کے حلقہ پی پی 10 اور پی پی 14 سے انتخابات لڑوں گا جب کہ  این اے 63 سے بھی الیکشن لڑنے کا ارادہ ہے، تاہم حتمی فیصلہ ٹیکسلا اور واہ کے  پارٹی رہنماؤں سے مشاورت کے بعد کروں گا۔

چوہدری نثار نے اپنی جماعت (ن) لیگ یا آزاد امیدوار کی حیثیت سے انتخابات میں حصہ لینے کا نہیں بتایا تاہم ان سے ملنے والے رہنماؤں نے انہیں مکمل حمایت کی یقین دہانی کرائی ہے۔

پی ٹی آئی کا تبدیلی لانے کا11نکاتی انتخابی منشور

adaria

سیاسی اُفق پر چھائے بادل کسی طوفانی کیفیت کا اشارہ کرتے دکھائی دے رہے ہیں،سیاسی پارٹیاں انتخابی راہ ہموار کرنے اور اپنا اپنا منشور کرنے میں سرگرداں ہیں،سیاسی درجہ حرارت ان دنوں کافی گرما گرم ہوتا دکھائی دے رہا ہے۔ گزشتہ روز پی ٹی آئی، پیپلزپارٹی اور ایم ایم اے کے انتخابی جلسوں نے سیاسی تپش کو بڑھا دیا ہے۔ اس ضمن میں چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے دو نہیں ایک پاکستان کیلئے 11 نکات کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت میں آیا تو ان نکات پر عمل کرکے ملک کو نیا پاکستان بنا دوں گا،پی ٹی آئی کے پاکستان میں تبدیلی کیلئے ایجنڈے کو یوں دیکھا جاسکتا ہے ،سکول اورہسپتال کا قیام ،قوم سے پیسہ جمع کر کے قرضہ سے نجات دلانا،نیب ،عدالتوں اور اداروں کو مضبوط کرنا،منی لانڈرنگ روک کر بیرون ملک سے پیسہ واپس لانا،سرمایہ کاری اور روزگار میں اضافہ کرنے کے ساتھ ساتھسیاحت کو فروغ دینا،زراعت میں اصلاحات لانا،صوبوں کو حقوق دینا ،جنوبی پنجاب صوبہ انتظامی بنیادوں پر بنانا،فاٹا کو خیبر پی کے میں ضم کرنا ، عمران خان کا کہنا ہے کہ بلدیاتی نظام لایا جائیگا فنڈز ارکان اسمبلی کو نہیں ملیں گے خواتین کو تعلیم دینگے۔ قوم کے لیے خون کے آخری قطرے تک لڑوں گا۔ مینار پاکستان میں منعقدہ جلسہ سے خطاب میں انہوں نے کہا ہے کہ ماضی میں پاکستان کی بیرون ممالک عزت تھی، ایوب کے دور میں پاکستان کو عزت سے دیکھا جاتا تھا لیکن آج اس ملک کے وزیراعظم کو امریکہ کے صدر کے ساتھ بات کرنے کی ہمت نہیں ہے۔ موجودہ حکمرانوں کا پرچیاں پڑھ کر امریکی صدر سے بات کرنا شرمناک ہے۔ قائداعظم کے مخالفین بھی انہیں صادق اور امین کہتے تھے، کہیں وہ اور کہاں آج کے حکمران۔ علامہ اقبال نے ہمارے لیے ایک خواب دیکھا تھا، آج کے جلسہ نے پاکستان کے تمام سیاسی شوز کے ریکارڈ توڑ دئیے ہیں۔ قوم اٹھ کھڑی ہوئی ہے ملک کو مضبوط مستحکم بنائیں گے۔ میں اپنی نہیں قوم کے بچوں کے حقوق کی جنگ لڑ رہا ہوں۔ میں آج قوم سے عہد کرتا ہوں کہ ان کے دیئے گئے ٹیکس کا ایک بھی پیسہ چوری نہیں ہونے دوں گا۔ قوم کو مجھ سے عہد کرنا ہوگا کہ وہ اس جنگ میں میرے ساتھ کھڑی ہوگی۔ دو نہیں ایک پاکستان بنے گا۔ جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک میں زرعی ایمرجنسی نافذ نیا بلدیاتی نظام لائیں گے تعلیم، صحت کے نظام میں اصلاحات بیروزگاری کرپشن ختم سرمایہ کاری بڑھائیں گے۔ لوگوں کو گھر دیں گے 50لاکھ گھر بنانے کا منصوبہ تیار کرلیا ہے ٹیکس نظام درست کریں گے نیب کو مزید تگڑا کرکے کرپشن ختم کریں گے۔ سال 2008 تک 6 ہزار ارب قرضہ تھا۔ آصف زرداری کے دور میں قرضہ 6 سے بڑھ کر 13 ہزار ارب ہو گیا۔ سال 2013سے 2018 میں قرض 27 ہزار ارب روپے ہو گیا۔ یہ 27 ہزار ارب روپے عوام مہنگائی کی صورت میں ادا کریں گے۔ ہر چیز مہنگی ہو گی۔ ہر چیز پر ٹیکس پر لگے گا کہ قرضے کی قسط دینی ہے جبکہ چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے لیاقت آباد کراچی کے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کراچی کا مسئلہ وہی حل کر سکتا ہے جو کراچی سے محبت کرتا ہے، کراچی میرا گھر ہے، کراچی میری سانسوں میں بستا ہے، بھٹو نے کراچی سے محبت کا راستہ ترک نہیں کیا۔ کراچی والوں کے مینڈیٹ پر بندوق کے زور پر قبضہ کر لیا گیا۔ میں دنیا میں کہیں بھی جاں کراچی میرا تعارف ہے، ہمیں کراچی میں بے امنی برداشت نہیں تھی۔ کراچی آپریشن سے اگر امن قائم ہوا تو اس کے کپتان وزیراعلیٰ سندھ تھے۔ ہم نے کراچی میں دہشت گردوں اور عسکری ونگز کے خلاف آپریشن کیا۔ کراچی میں امن تو قائم ہو چکا، پہلا مرحلہ ہم نے سر کر لیا، اب کراچی میں مستقل امن کیلئے ضروری ہے پولیس کو فعال کیا جائے۔ ہم کراچی کو مستقل مصیبت سے آزاد کرائیں گے۔ ایم ایم اے اور جے یو آئی (ف )کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہاہے کہ پاکستان آج بین الاقوامی دباومیں ہے ، امریکاامن کے نام پر قوموں کی آزادی چھین کر انسانیت کا خون کررہا ہے اقوام متحدہ کو کشمیرفلسطین اور افغانستان میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی نظر نہیں آر ہا، اقوام متحدہ کی چھتری تلے عراق میں اینٹ سے اینٹ بجادی گئی پاکستان کی دینی قوتیں متحد ہیں روشن خیالی ہر دور میں مسئلہ رہی ہے۔ ایم ایم اے کے مرکزی نائب صدر و امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہاکہ پانامہ لیکس میں کسی مولوی کا نام نہیں کہ آج سارے دینی جماعتوں کی قیادت ایک مرکز پر جمع ہوگئی ہم نے ابھی قدم نہیں اٹھائے کہ ان کے رنگ پیلے ہوگئے ہیں لیکن اب ہم ایک ہوگئے ہیں تو اسلامی نظام کا نفاذ کوئی نہیں روک سکتا۔ان کا کہنا تھا کہ میرا جسم میری مرضی کا کلچر تحریک پاکستان اور قائد اعظم کے وژن سے غداری ہے، ملک میں فحاشی برداشت نہیں کر سکتے کرپشن فری پاکستان صرف ایم ایم اے بنا سکتی ہے لہذا ایم ایم اے اقتدار میں آکر سیاسی اور اخلاقی کرپشن کا خاتمہ کرے گی۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کے 85 فیصد نوجوان اسلامی نظام چاہتی ہیں، ہماری سیاست امریکا کی نہیں مدینہ منورہ کی ہے اور ہم کسی صورت ناموس رسالت قانونسے چھیڑ چھاڑ کو قبول نہیں کریں گے۔ سیاسی پارٹیاں ایک دوسرے پر الزام تراشی کی بجائے اپنا اپنا منشور عوام کے سامنے پیش کریں، سیاست میں گالم گلوچ اور ایک دوسرے پر کیچڑ اچھالنے کی روایت اب ختم ہو جانی چاہئیں،سیاست میں برداشت اور جمہوری کلچر کو فروغ دینے کی ضرورت ہے، چیئرمین پی ٹی آئی نے 11نکاتی ایجنڈا پیش کیا ہے اسی طرح دیگر پارٹیاں بھی اپنا اپنا منشور دیں اور سیاسی راہ ہموار کریں یہی وقت کی ضرورت اور تقاضاہے، ملک محاذ آرائی کامتحمل نہیں ہوسکتا، سیاسی رہنما بردباری اور صبروتحمل سے سیاسی جلسے کریں اور ملک میں سیاسی استحکام پیدا کرنا بھی ان کا فرض قرار پاتا ہے۔

بھارتی کشتی کی فنی خرابی اور پاک بحریہ کا کردار
پاک بحریہ کی کامیاب کوششوں سے بھارتی ماہی گیروں کی کشتی میں فنی خرابی دور ہوگئی جس کے باعث ماہی گیروں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی، کشتی میں سوار12افراد کی پریشانیاں جہاں ختم ہوئیں وہاں ان کو ایک نئی زندگی نصیب ہوئی۔ واضح رہے کہ کشتی میں سوار افراد ،پیاس اور بھوک سے نڈھال تھے جن کی امداد کیلئے پاک بحریہ میدان میں آئی اور ان کی کاوشیں کامیاب قرار پائیں اور یوں کشتی کی خرابی دور ہوئی اور یہ اپنی منزل کی طرف رواں دواں ہوگئی۔ پاک بحریہ کے جہاز عالمگیر نے انسانی ہمدردی کے تحت بھارتی ماہی گیروں کی مدد کی۔پی این ایس عالمگیر کی ٹیکنیکل ٹیم نے بھارتی کشتی کے انجن کی فنی خرابی کو دور کیا جبکہ ماہی گیروں کو اشیائے خورد و نوش کے ساتھ طبی امداد بھی فراہم کی جس پر بھارتی ماہی گیروں نے اظہار تشکر کے طور پر کھلے سمندر میں پاکستان زندہ باد کے نعرے لگائے۔ ترجمان کا کہنا تھا پاک بحریہ انسانی مدد کے آپریشنز کی انجام دہی میں بھی پیش پیش رہتی ہے اور یہ آپریشن اس بات کا بھی غماز ہے کہ پاکستان علاقائی امن کا خواہاں ہے۔ بھارتی کشتی کی فنی خرابی کو دور کرکے پاک بحریہ نے انسانی ہمدردی کا جو کردار ادا کیا ہے وہ اس امر کا عکاس ہے کہ پاکستان امن پسند ملک ہے اور پڑوسی ملک کے ساتھ تمام مسائل کا پرامن حل چاہتا ہے، ایک طرف پاکستان کا یہ رویہ ہے تو دوسری طرف بھارتی رویہ اس کے برعکس ہے، بھارت ایک طرف سرحدی قوانین کی خلاف ورزی کررہا ہے تو دوسری طرف مقبوضہ کشمیر میں ظلم و بربریت کے پہاڑ ڈھائے ہوئے ہے اور ’’را‘‘ کے ذریعے اس کی دہشت گردانہ کارروائیاں بھی پاکستان کیلئے تشویش کا باعث ہیں، بھارت اپنے رویے کو درست کرے۔

انضمام الحق ٹور میچ میں بھتیجے امام الحق کی کارکردگی پر مسرور

لاہور: چیف سلیکٹر انضمام الحق نے ٹور میچ میں اپنے بھتیجے امام الحق کی اچھی کارکردگی پر خوشی کا اظہار کیا ہے۔

لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے قومی ٹیم کے چیف سلیکٹر انضمام الحق نے کہا کہ انگلینڈ کا ٹور کافی مشکل ہے اور تمام ایشین ٹیموں کو ایسی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے، اسی لیے ٹیم کو کنڈیشنز سے آگاہی کے لیے جلدی بھیجا گیا جب کہ کوشش ہوتی ہے کہ ٹیم میں زیادہ سے زیادہ نوجوان کھلاڑیوں کو موقع دیا جائے کیوں کہ پاکستان ٹیم انگلینڈ کو ہرانے کی بھرپور صلاحیت رکھتی ہے۔

انضمام الحق کا کہنا تھا کہ ٹور میچ کی پہلی اننگز میں امام الحق کی پرفارمنس سے خوشی ہوئی تاہم ٹیم کے تمام کھلاڑی اچھی کارکردگی دکھائیں تو زیادہ خوشی ہوگی جب کہ محمد آصف کی باتوں کا جواب دینا ضروری نہیں سمجھتا، منٹو پارک کا گراﺅنڈ ختم ہونا لاہور میں کرکٹ کیلیے بہت بڑا نقصان ہے۔

Google Analytics Alternative