Home » 2018 » May » 15

Daily Archives: May 15, 2018

جانئے آج آپ کا دن کیسا رہے گا

حمل:
21مارچ تا21اپریل

پلاٹ یا مکان کے کسی جھگڑے میں بہت زیادہ ملوث نہ ہوں اس طرح آپ کچھ حاصل نہ کر سکیں گے آپ اعلیٰ صلاحیتوں کے مالک ہیں اس کا مطلب یہ تو نہیں کہ دوسروںکو خاطر میں نہ لایا جائے۔

ثور:
22اپریل تا20مئی

گھریلو ماحول درست رہے گا لیکن شرط یہ ہے کہ آپ بھی اپنا مزاج ٹھنڈا ہی رکھیں کیونکہ چند موقعوں پر تلخ باتوں کا بھی سامنا کرنا پڑ سکتا ہے جنہیں اگر آپ برداشت نہ کر سکے۔

جوزا:
21مئی تا21جون

اپنے مخالفین کی تعداد کو کم کرنے کی کوشش کیجئے اس کا بہتر طریقہ یہ ہے کہ اپنے مخالفین سے دو ٹوک مگر مصالحانہ انداز اپناتے ہوئے بات چیت کر لیجئے  یقینا آپ محسوس کریں گے کہ غلط فہمیوں کا ازالہ ہو چکا ہے۔

سرطان:
22جون تا23جولائی

ایسی کوئی رقم بھی مل سکتی ہے جسے آپ تقریباً نہ ملنے کی امید میں فراموش کر چکے ہیں، جائیداد کا الجھا ہوا کوئی مسئلہ بآسانی حل ہو سکتا ہے، کسی غیر ملکی فرم کے ساتھ بہتر نتائج کا حامل معاہدہ ہو سکتا ہے۔

اسد:
24جولائی تا23اگست

ذہنی طور پر کافی الجھائو رہے گا عموماً کچھ نہ کچھ سوچتے ضرور رہیں گے اپنے حقیقی ہمدردوں سے قدرے بدظن رہیں گے اور مخالفوں کی کہی ہوئی یا اڑائی ہوئی افواہوں پر زیادہ اعتبار کریں گے۔

سنبلہ:
24اگست تا23ستمبر

کوئی مخالف خواہ کتنا ہی گہرا دوست کیوں نہ بن جائے آپ اس سے دور رہنے کی کوشش کیجئے کیونکہ اگر کل کا دشمن آج دوست بن چکا ہے تو آنے والے کل وہ دوبارہ وبال جان بن سکتا ہے۔

میزان:
24ستمبر تا23اکتوبر

گھریلو حالات زیادہ تربہتر ہی رہیں گے لیکن اس کے لئے آپ کو صبرو تحمل سے کام لینا پڑ سکتا ہے۔کیونکہ یہ ضروری نہیں کہ گھر کے دیگر افراد کا مزاج بھی آپ جیسا ہی ہو۔

عقرب:
24اکتوبر تا22نومبر

آپ کا اکثر یہ خیال ہو تا ہے کہ خطروں کو ٹالنا مشکل ہے چنانچہ یہی وجہ ہے کہ آپ ان کاموں کی تکمیل میں بھی مایوسی کا اظہار کرتے ہیں جو درحقیقت دوسروں کیلئے مشکل نہیں ہوتے۔

قوس:
23نومبر تا22دسمبر

محبوب پر ضرورت سے زیادہ بھروسہ کرکے آپ عقلمندی کا ثبوت نہیں دے رہے کیا آپ اسے وفادار سمجھتے ہیں؟ ذرا اس سلسلے میں خفیہ طور پر تحقیقات تو کر لیں بڑے عجیب و غریب راز آشکار ہو سکتے ہیں۔

جدی:
23دسمبر تا20جنوری

اتفاقیہ کامیابیوں نے آپ کو مغرور بنا دیا ہے اور آپ اعتدال سے تجاوز کرتے چلے گئے نتیجہ اب آپ کے سامنے ہے ازسر نو کاروباری معاہدے ہو سکتے ہیں اپنے فرائض پوری ذمہ داری کے ساتھ انجام دیں۔

دلو:
21جنوری تا19فروری

دوستوں کی جانب سے بھی اندیشہ رہے گا کہ کب وہ آپ کو نقصان پہنچائے۔ دشمن کی دشمنی تو سامنے کی بات ہوتی ہے اس لئے آدمی محفوظ رہ جاتا ہے لیکن دوست کی مخالفت کو بہ آسانی پکڑا نہیں جا سکتا۔

حوت:
20 فروری تا 20 مارچ

آپ نے کاروبار کو فروغ دینے کیلئے اپنی تمام صلاحیتوں کو آزما لیا لیکن کوئی فائدہ نہیں ہو سکا آپ خود کو ضرورت سے زیادہ عقلمند سمجھتے ہوئے بعض امور کے سلسلے میں انتہائی تیزرفتاری کا مظاہرہ بھی کر گئے۔

اگر غدار ہوں تو قومی کمیشن بنایا جائے تاکہ حساب کتاب ہو جائے، نواز شریف

بونیر: پاکستان مسلم لیگ (ن) کے تاحیات قائد نواز شریف کا کہنا ہے کہ اگر میں غدار ہوں تو قومی کمیشن بنایا جائے تاکہ حساب کتاب ہو جائے۔

بونیر میں جلسہ عام سے خطاب کے دوران نواز شریف نے کہا کہ ہم نے دہشت گردوں کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر دہشت گردی ختم کی، کراچی میں وہاں کی حکومت نے کچھ نہیں کیا ہم نے امن قائم کیا۔ جو پاکستان کا آئین توڑتے اور ملک میں دہشت گردی کا بیچ بوتے ہیں وہ محب وطن ہیں، غدار اس شخص کو کہا گیا جو وطن کے لیے مرتا ہے، یہ الٹی گنگا اب نہیں بہے گی۔ اگر میں غدار ہوں تو قومی کمیشن بنایا جائے تاکہ حساب کتاب ہوجائے، جو مجرم ثابت ہو اسے سرعام پھانسی دی جائے۔ یہ کسی مخصوص لوگوں کا ملک نہیں ہم سب کا ہے، ہم ملک کو نقصان پہنچانے والی طاقتوں کے خلاف کھڑے ہوں گے۔

نواز شریف نے کہا کہ 5 ارب ڈالر کی منی لانڈرنگ کے الزام پر بھی کمیشن بننا چاہیے، ہم چیرمین نیب کو ایسے نہیں چھوڑیں گے، وہ بھی اس کمیشن میں پیش ہوں، چیرمین نیب کمیشن کے سامنے کہیں کہ میں معافی مانگتا ہوں اور گھر جاتا ہوں۔ عوام کے ووٹ کی حرمت کو پامال نہیں ہونے دیں گے، ملک کو نقصان پہنچانے والی طاقتوں کے خلاف کھڑے ہوں گے۔

پاکستانی شہری کو کچلنے والا امریکی سفارتکار کرنل جوزف امریکا روانہ

اسلام آباد: پاکستانی شہری کو کچل کر ہلاک کرنے والا امریکی کرنل جوزف پاکستان سے امریکا روانہ ہوگیا۔

اسلام آباد میں پاکستان شہری کو کچل کر ہلاک کرنے کے مرتکب امریکی ملٹری اتاشی کرنل جوزف کو دفتر خارجہ کی جانب سے سفارتی استثنیٰ دے دیا گیا جس کے بعد وہ نورخان ایئربیس سے خصوصی طیارے کے ذریعے امریکا روانہ ہوگئے۔

سفارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ کرنل جوزف کو ویانا کنونشن 1961 کے تحت سفارتی استثنیٰ حاصل ہے حادثے کے بعد پاکستانی حکام نے امریکا سے درخواست کی تھی کہ کرنل جوزف کو حاصل سفارتی استثنیٰ ختم کیا جائے تاہم امریکا نے سفارتی استثنیٰ کو ختم نہیں کیا جس پر اس سہولت سے فائدہ اٹھاتے ہوئے کرنل جوزف امریکا روانہ ہوگئے۔

سفارتی ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ امریکا نے یقین دہانی کرائی ہے کہ کرنل جوزف کے خلاف ویانا کنونشن کے تحت کارروائی کی جائے گی۔

خیال رہے کہ ایک روز قبل بھی کرنل جوزف نے امریکا جانے کی کوشش کی تھی اور انہیں لینے کے لیے ایک طیارہ آیا تھا تاہم ایف آئی اے نے دفتر خارجہ کی کلیئرنس نہ ہونے پر انہیں پاکستان چھوڑنے سے روک دیا تھا۔

واضح رہے کہ 7 اپریل کو گاڑی میں سوار کرنل جوزف نے اسلام آباد کے علاقے بارہ کہو کے قریب ٹریفک سگنل توڑا جس کے باعث موٹر سائیکل سوار دو افراد ان کی گاڑی سے ٹکرا گئے جس کے نتیجے میں عتیق بیگ نامی نوجوان موقع پر جاں بحق اور اس کا کزن شدید زخمی ہوگیا تھا جب کہ پولیس نے سفارتی استثنیٰ کے باعث کرنل جوزف کو جانے کی اجازت دے دی تھی۔

’اجمل قصاب بھارت کا مہرہ تھا اسی لیے پاکستان کو رسائی نہیں دی گئی تھی‘

اسلام آباد: سابق وزیر داخلہ اور پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے سینئر رہنما رحمٰن ملک نے ممبئی حملہ کیس کے مرکزی مجرم اجمل قصاب کے حوالے سے کہا ہے کہ وہ بھارت کا اپنا مہرہ تھا اس لیے ان تک پاکستان کو رسائی نہیں دی گئی۔

وفاقی دارالحکومت میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سابق وزیرِ داخلہ رحمٰن ملک کا کہنا تھا کہ بھارت اپنے ریاستی عناصر بھیج کر پاکستان میں دہشت گردی کرواتا رہا ہے۔

انہوں نے الزام عائد کیا کہ ممبئی حملہ مکمل طور پر بھارتی خفیہ ایجنسی ’را‘ نے کروایا، یہ را کا اسٹنگ آپریشن تھا۔

سابق وزیر داخلہ نے انکشاف کیا کہ ’میں نے اس وقت کے بھارتی ہم منصب سے کہا تھا کہ ممبئی حملہ کیس کے حوالے سے ثبوت دیں، میں دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کروں گا‘۔

رحمٰن ملک کا کہنا تھا کہ انہوں نے ممبئی حملہ کیس کی تحقیقات کرنے کے لیے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) تشکیل دی تھی۔

اپنی پریس کانفرنس کے آغاز میں انہوں نے وضاحت پیش کرتے ہوئے کہا تھا کہ ان کی پریس کانفرنس میں کوئی الزام تراشی نہیں ہوگی اور نہ ہی یہ کسی کے خلاف ہوگی۔

سابق وزیرداخلہ کا کہنا تھا کہ ’سابق وزیرِاعظم نواز شریف قوم پر رحم کریں گے اور اپنا بیان واپس لیں گے، اور میں امید کرتا ہوں کہ نواز شریف اپنے بیان کو واپس لے کر وضاحت پیش کریں گے‘۔

غیر ریاستی عناصر کی بات کرتے ہوئے رحمٰن ملک کا کہنا تھا کہ ’نان اسٹیٹ ایکٹرز وہ ہوتے ہیں جن کو حکومت کی پشت پناہی نہیں ہوتی‘۔

یاد رہے کہ نواز شریف نے ممبئی حملوں پر راولپنڈی کی انسداد دہشت گردی کی عدالت میں دائر مقدمے کے حوالے سے کہا تھا کہ اس مقدمے کی کارروائی ابھی تک مکمل کیوں نہیں ہوسکی؟ ان کا مزید کہنا تھا کہ عسکری تنظیمیں اب تک متحرک ہیں جنھیں غیر ریاستی عناصر کہا جاتا ہے، مجھے سمجھائیں کہ کیا ہمیں ان کو اس بات کی اجازت دینی چاہیے کہ سرحد پار جا کر ممبئی میں 150 لوگوں کو قتل کردیں۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ عمل ناقابل قبول ہے یہی وجہ ہے جس کی وجہ سے ہمیں مشکلات کا سامنا ہے، یہ بات روسی صدر ولادی میر پیوٹن اور چینی صدر ژی جنگ نے بھی کہی۔

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان اور پاکستان پیپلز پارٹی سمیت دیگر حزب اختلاف کی جماعتوں نے اس بیان کو غداری سے منسوب کرتے ہوئے نواز شریف سے معافی مانگنے کا مطالبہ کیا تھا۔

دوسری جانب سے مسلم لیگ (ن) کے ترجمان نے وضاحتی بیان جاری کرتے ہوئے کہا تھا کہ پارٹی قائد کے بیان کو بھارتی میڈیا نے توڑ مروڑ کر پیش کیا اور بدقسمتی سے پاکستان الیکٹرونک اور سوشل میڈیا کے ایک حلقے نے بھارتی پروپیگنڈے کی توثیق کردی۔

خیال رہے کہ پاک فوج کی ‘تجاویز’ پر ممبئی حملوں کے حوالے سے میڈیا میں ‘گمراہ کن’ بیانات پر مشاورت کے لیے 14 مئی کو قومی سلامتی کمیٹی کااجلاس طلب کیا گیا تھا۔

بعدِ ازاں 14 مئی کو وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیرِ صدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اہم اجلاس ہوا جس میں اعلیٰ سیاسی اور عسکری قیادت شریک ہوئی۔

ریچا چڈا کو ہریتھک روشن کی والدہ بننے کی پیش کش

’مسان، فقرے، داس دیو، سربجیت، راکھ، گینگ آف واسع پور اور چاک اینڈ ڈسٹر‘ جیسی فلموں میں اداکاری کے جوہر دکھانے والی بولی وڈ کی ورسٹائل اداکارہ ریچا چڈا نے انکشاف کیا ہے کہ انہیں خود سے 13 سال بڑے اداکار کی والدہ بننے کی پیش کش کی گئی۔

خیال رہے کہ 31 سالہ ریچا چڈا 6 سال قبل یعنی 25 سال کی عمر میں بھی خود سے 24 سال بڑے اداکار نوازالدین صدیقی کی والدہ کا کردار ادا کر چکی ہیں۔

ریچا چڈا کو 2012 میں آنے والی ایکشن تھرلر فلم ’گینگ آف واسع پور‘ میں نوازالدین صدیقی کی والدہ کا کردار دیا گیا تھا، اس وقت اداکار کی عمر 39 سال تھی۔

25 سال کی عمر میں ایک والدہ کا کردار ادا کرنے والی اداکارہ کو ایک بار پھر 2012 میں ایک اور ایکشن روینج تھرلر فلم ’اگنی پتھ‘ میں اداکار ہریتھک روشن کی والدہ کا کردار نبھانے کی پیش کش کی گئی تھی۔

ہندوستان ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق 31 سالہ اداکارہ نے ’اگنی پتھ‘ میں ہریتھک روشن کی والدہ کا کردار نبھانے کی پیش کش کو انتہائی بے وقوفانہ پیش کش قرار دیتے ہوئے کہا کہ فلم سازوں کو صرف فلم کی کمائی سے غرض ہوتی ہے۔

اداکارہ کا کہنا تھا کہ یہ ناانصافی ہی ہے کہ ایک نوجوان اداکارہ کو اپنی عمر سے محض 12 سے 13 سال بڑے اداکاروں کی والدہ کا کردار نبھانے کی پیش کشی کی جاتی ہے۔

اداکارہ گینگ آف واسع پور میں بھی ماں کا کردار ادا کر چکی ہیں—اسکرین شاٹ/یوٹیوب
اداکارہ گینگ آف واسع پور میں بھی ماں کا کردار ادا کر چکی ہیں—اسکرین شاٹ/یوٹیوب

ساتھ ہی انہوں نے یہ شکوہ بھی کیا کہ اگرچہ انہوں نے رسک لے کر ’گینگ آف واسع پور‘ میں نوازالدین صدیقی کی والدہ کا کردار انتہائی منفرد انداز میں نبھایا، تاہم کسی نے بھی اس کی اداکاری کی تعریف نہیں کی۔

’فقرے‘ کی بھولی پنجابن کے مطابق انہوں نے جب نوازالدین صدیقی کی والدہ کا کردار ادا کیا، اس وقت انہیں اداکاری کی شروعات کیے ہوئے محض 4 سال ہی ہوئی تھے، تاہم کسی نے بھی ان کی اداکاری کی تعریف نہیں کی۔

31 سالہ اداکارہ نے اس بات کا شکوہ بھی کیا کہ زیادہ تر لوگ انہیں ان کی اصل عمر سے زیادہ بڑی عمر کی خاتون سمجھتے ہیں۔

اداکارہ نے اب تک ادا کیے گئے کرداروں میں ’بھولی پنجابن‘ کے کردار کو سب سے بہترین، مضبوط اور خواتین کی مختاری کے مترادف کردار قرار دیا۔

ریچا چڈا کے مطابق انہیں ہریتھک روشن کی والدہ کے کردار کی پیش کش انتہائی نامناسب اور بے وقوفانہ محسوس ہوئی۔

اداکارہ کو اگنی پتھ میں ہریتھک کی والدہ کا کردار نبھانے کی پیش کش بھی ہوئی—فائل فوٹو: اتفاق
اداکارہ کو اگنی پتھ میں ہریتھک کی والدہ کا کردار نبھانے کی پیش کش بھی ہوئی—فائل فوٹو: اتفاق

خیال رہے کہ ہریتھک روشن کی فلم ’اگنی پتھ‘ 2012 میں ریلیز ہوئی تھی، جس میں ان کے ساتھ پریانکا چوپڑا اور سنجے دت جیسے اداکار بھی ایکشن میں نظر آئے تھے۔

اس فلم میں ہریتھک روشن نے وجے کا کردار ادا کیا تھا، جس کی والدہ کا کردار معروف اداکارہ زینت وہاب نے ادا کیا تھا، اسی کردار کی پہلی پسند ریچا چڈا تھیں، جو ہریتھک روشن سے 13 سال چھوٹی ہیں۔

ریچا چڈا نے 2008 میں ’اوئے لکی لکی اوئے‘ سے فلمی کیریئر کا آغاز کیا، اب تک وہ تھرلر، کامیڈی، رومانٹک اور ایکشن فلموں میں نظر آ چکی ہیں۔

حال ہی میں وہ پولیٹیکل تھرلر فلم ’داس دیو‘ میں نظر آئیں، اس سے قبل گزشتہ برس ریلیز ہونے والی ان کی رومانٹک کامیڈی فلم ’فقرے رٹرنز‘ نے 100 کروڑ روپے کماکر نئے ریکارڈ بھی بنائے تھے۔

—فوٹو: ریچا چڈا انسٹاگرام
—فوٹو: ریچا چڈا انسٹاگرام

سلمان خان کا سونم کو شادی پر مہنگا ترین تحفہ

بالی وڈ اداکار سلمان خان نے سونم کپور کو شادی میں نہایت قیمتی کار تحفے میں دی ہے۔

سلمان خان اداکاری کے ساتھ ساتھ دریا دلی کے حوالے سے بھی پہچانے جاتے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ وہ اکثر اپنے ساتھ کام کرنے والے اداکاروں کو قیمتی تحائف دیتے ہیں۔

سلو میاں نے حال ہی میں فلم ’پریم رتن دھن پایو‘ میں اپنے ساتھ کام کرنے والی اداکارہ سونم کپور کی شادی میں شرکت کی جہاں انہوں نے شاہ رخ خان، انیل کپور اور رنویر سنگھ کے ساتھ جم کر موج مستی کی۔

لیکن اب بھارتی میڈیا میں شادی میں سلو میاں کی جانب سے سونم کپور کو لگژری کار تحفے میں دینے کی خبریں سامنے آئی ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق سلمان خان نے سونم کپور اور آنند اہوجا کو شادی کے موقع پر 90 لاکھ بھارتی روپے مالیت کی اوڈی کار تحفے میں دی ہے۔

دبنگ خان کی جانب سے قریبی دوست انیل کپور کی صاحبزادی کو دیا جانے والا تحفہ اب تک کا مہنگا ترین تحفہ تصور کیا جارہا ہے۔

یاد رہے کہ سلمان خان سونم کپور کے والد انیل کپور کے ساتھ فلم ’ریس 3‘ میں بھی ادکاری کرتے نظر آئیں گے۔ یہ فلم 15 جون کو نمائش کے لیے پیش کی جائے گی۔

نواز شریف نے امریکا جاکر کارگل سے فوجی واپس بلالیے، مشرف

دبئی: سابق صدر پرویز مشرف نے کہا ہے کہ کارگل سے فوجیوں کا انخلا نواز شریف کرایا تھا وہ امریکا گئے اور وہاں سے فوجیوں کی واپسی کا آرڈر جاری کردیا۔

دبئی سے جاری اپنے ویڈیو پیغام میں سابق صدر پرویز مشرف نے کہا ہے کہ نواز شریف نے غلط وقت پر بیان دیا، نواز شریف نے اپنے بیان سے فوج اور اسٹیبلشمنٹ کو ذمہ دار قرار دیا اپنے ملک کی آرمی کو بدنام کرنا انتہائی افسوس ناک عمل ہے ایسے وقت پر یہ بیان آنے کے پیچھے ضرور کوئی نہ کوئی بات چھپی ہے۔

آل پاکستان مسلم لیگ کے سربراہ نے کہا کہ کارگل سے فوجیوں کا انخلا کروا کر نواز شریف نے غلط قدم اٹھایا نواز شریف امریکا گئے اور وہاں سے فوجیوں کی واپسی کا آرڈر جاری کردیا اور فوجیوں کی واپسی کا الزام مجھ پر عائد کردیا۔

کارگل واقعے کے وقت کے آرمی چیف پرویز مشرف نے مزید کہا کہ نواز شریف الزام لگاتے ہیں کہ کارگل کی کارروائی پر انہیں اعتماد میں نہیں لیا گیا حالاں کہ انہیں کارگل کے معاملے پر دوبار بریفنگ دی تھی، کارگل سے فوجیوں کی واپسی پر راجہ ظفر الحق اور چوہدری شجاعت نے مخالفت کی۔

100ارب کے ریفنڈز رواں سال جاری کردیں گے، وزیر خزانہ

کراچی: وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ حکومت ریفنڈز کی مد میں رواں سال100 ارب روپے جاری کردے گی۔

مفتاح اسماعیل نے ہفتے کو کونسل آف آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن کے اجلاس سے خطاب کے دوران بتایا کہ ڈی ویلیوایشن سے ملکی برآمدات پر مثبت اثرات مرتب ہوئے ہیں۔ اپریل 2018میں برآمدات 18 فیصدبڑھیں اور درآمدات میں2 فیصد کا اضافہ ہوا جبکہ مارچ میں برآمدات24 فیصد بڑھیں اور درآمدات میں 6 فیصد کا اضافہ ہوا۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ حکومت رواں سال ملکی برآمدات کو23 ارب ڈالر اور اگلے سال28 ارب ڈالر تک پہنچانے کی خواہاں ہے۔ نٹ ویئر سیکٹرکو ڈی ٹی آرای کے تحت یارن درآمد کرنے کی اجازت دیدی جائے گی۔ برآمدی مصنوعات کی تیاری میں استعمال ہونے والے متعدد خام مال کی درآمدی ڈیوٹی میں کمی کی جارہی ہے۔

مفتاح اسماعیل نے کہا کہ فروٹ ویجیٹیبل پنکھاسازی سمیت دیگر شعبوں کوترقی دے کر ہم برآمدات بڑھانے کی حکمت عملی ترتیب دے رہے ہیں۔ اس سال پاکستان ایکسپورٹ بڑھانے والے ملکوں میں آٹھویں نمبر پر ہے۔ حکومت پورے ایکسپورٹ سیکٹر کو ریبیٹ نہیں دے سکتی۔ وفاقی حکومت گارنٹی دیتی ہے بزنس کمیونٹی ڈی سیلینیشن پلانٹ لگالیں۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ حکومت کا مالی سال کے آغاز سے ہی خسارے کاشکار ہو جاتا ہے۔ وفاقی حکومت جو ٹیکس جمع کرتی ہے وہ قرضے کی ادائیگی میں چلا جاتا ہے۔ پہلی ترجیح افراط زر کو کنٹرول کرنا ہے۔ جو بھی رعایتی پیکج دیتے ہیں اس میں حکومت کو وصولی میں کمی بھی شامل ہوتی ہے۔ ملک کے تمام برآمدکنندگان مجموعی طورپر31 ارب روپے مالیت کے ٹیکسوں کی ادائیگیاں کرتے ہیں جبکہ سگریٹ بنانے والی ایک کمپنی تمام ایکسپورٹرز سے زائد ٹیکس ادا کرتی ہے۔ حکومت کا مالی سال کے آغاز سے ہی خسارے کاشکار ہوجاتا ہے۔ وفاقی حکومت جو ٹیکس جمع کرتی ہے وہ قرضے کی ادائیگی میں چلا جاتا ہے۔ پہلی ترجیح افراط زر کو کنٹرول کرنا ہے۔

مفتاح اسماعیل نے کے الیکٹرک پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ کے الیکٹرک کے گیس اور فرنس آئل کے ٹربائین چل رہے ہیں مگر انہوں نے سرمایہ کاری کرنے کا جو وعدہ کیا تھا اس کو پورا نہیں کیا۔ کے الیکٹرک کی فلیٹ ایفیشنسی 30 سے بڑھ کر 37 فی صد ہوگئی ہے جبکہ لائین لاسز میں بھی کمی ہوئی ہے۔ کراچی کی لوڈ شیڈنگ میں سندھ کی صوبائی حکومت بھی ذمے دار ہے۔ کراچی واٹر بورڈ نے کے الیکٹرک کے 36 ارب روپے کی ادائیگی نہیں کی ہے، اگر یہ ادائیگی کی ہوتی تو سوئی سدرن کے پیسے بھی نہ واجب الادا ہوتے۔ اب کے الیکٹرک کو شنگھائی الیکٹرک خرید رہی ہے اس لیے موجودہ انتظامیہ کی دلچسپی نہیں رہی ہے۔

قبل ازیں کونسل کے سربراہ زبیر موتی والا نے کہا کہ اربوں روپے کے ریفنڈز کی عدم ادائیگیوں کی وجہ سے ویلیوایڈڈ ٹیکسٹائل سیکٹر کے چھوٹے ایکسپوٹرز کاوجود ختم ہورہاہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم برآمدی پیکیج کلیمز داخل کرنے والوں کو 3 ماہ سے ادائیگیاں نہیں ہورہی ہیں۔ مالیاتی بحران ختم کرنے کیلیے ریفنڈ پیمنٹ آرڈر کو بینکنگ انسٹرومنٹ بنایا جائے۔ اس موقع پر جاوید بلوانی نے بھی خطاب کیا۔

Google Analytics Alternative