Home » 2018 » July » 01

Daily Archives: July 1, 2018

سنجے دت کی ایکشن سے بھرپور فلم کا ٹریلر جاری

ممبئی: بالی ووڈ ایکشن ہیرو سنجے دت کی ایکشن سے بھرپور فلم ’صاحب ،بیوی اور گینگسٹرتھری‘ کا ٹریلر جاری کردیا گیا۔

بالی ووڈ میں 90 کی دہائی سے لاکھوں دلوں پر راج کرنے والے سنجے دت کے فلمی کیریئر اور حقیقی زندگی دونوں میں ہی کئی اتار چڑھاؤ آتے رہے ہیں یہی وجہ ہے کہ بالی ووڈ کے نامور ہدایت کار راجکمار ہیرانی نے ان کی زندگی پر فلم بنائی ہے جو گزشتہ روز ہی ریلیز ہوئی ہے ایسے میں سنجو بابا کی اپنی فلم ’صاحب بیوی اور گینگسٹر تھری‘ کا ٹریلر بھی جاری کردیا گیا ہے۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق معروف اداکار سنجے دت کی ایکشن اور سسپینس سے بھرپور فلم’ صاحب ،بیوی اور گینگسٹر تھری‘ کا ٹریلر جاری کردیا گیا ہے جس میں وائلڈ کارڈ گیم کو بھی دکھانے کی کوشش کی گئی ہے جب کہ سنجے دت کی انٹری کو اُن کے ڈائیلاگ ’میرے بارے میں جو بھی سنا ہوگا بُرا ہی سنا ہوگا‘ کے ساتھ دکھایا گیا ہے۔

فلم کے ٹریلر کے اختتامی حصے میں محبت اور دھوکہ دہی کی کہانی دکھائی گئی ہے جب کہ فلم کے تیسرے سیکوئل میں سنجے دت کے ہمراہ مرکزی کردار ادا کرنے والے معروف اداکار جمی شیرگل  بھی خاصی منفرد انداز میں نظر آرہے ہیں، ٹریلر کا اختتام بھی سنجے دت کے ڈائیلاک ’زندگی کا مزہ ہم نے بہت کم لیا ہے اور واپس آیا ہوں زندگی بھر کا مزہ لینے،  پر ہوا۔

واضح رہے کہ ایکشن اور سسپینس سے بھرپور فلم ’ صاحب ،بیوی اور گینگسٹرتھری‘ میں سنجے دت کے مد مقابل جمی شیرگل، کبیر بیدی، دیپک تجوری اور نفیسہ علی مرکزی کردار میں نظر آئیں گی جب کہ فلم 27 جولائی کو سینما گھروں کی زینت بنے گی۔

نگران حکومت نے فی لیٹر پیٹرول کی قیمت 99.50 روپے کردی

نگران حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات قیمتوں میں اضافہ کردیا جس کے بعد پیٹرول کی نئی قیمت 99.50 روپے فی لیٹر ہوگئی۔

محکمہ خزانہ کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق پیٹرول کی قیمت میں 7 روپے 54 پیسے فی لیٹر اضافہ کیا گیا جس کے بعد اس کی نئی قیمت 99.50 ہوگئی۔

ڈیزل کی قیمت میں فی لیٹر 14 روپے کا اضافہ کیا گیا جس کے بعد اس کی نئی قیمت 119 روپے 31 پیسے ہوگئی جبکہ مٹی کے تیل کی قیمت 3 روپے 36 پیسے اضافے کے بعد 87.7 روپے فی لیٹر ہوگئی۔

لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 5 روپے 92 پیسے فی لیٹر اضافہ کیا گیا جس کے بعد اس کی فی لیٹر قیمت 80 روپے 91 پیسے پر پہنچ گئی۔

سرکاری اعلامیے کے مطابق مشکل مالی حالات کے سبب پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کیا گیا ہے۔

اوگرا نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی سمری پیٹرولیم ڈویژن کو بھجوائی تھی اور پیٹرولیم ڈویژن نے سمری وزارت خزانہ کو بھجوائی تھی۔

آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں سے متعلق سمری بھجوادی گئی ہے جس میں پیٹرول 5 روپے 40 پیسے فی لیٹر مہنگا کرنے کی تجویز پیش کی گئی تھی۔

گزشتہ ماہ بھی نگران حکومت نے پیٹرول کی قیمت میں 4 روپے 26 پیسے کا اضافہ کیا تھا۔

رجسٹرڈ افغان مہاجرین کے قیام میں 3 ماہ کی عبوری توسیع کا فیصلہ

اسلام آباد: نگراں وفاقی کابینہ نے پاکستان میں مقیم رجسٹرڈ افغان مہاجرین کے قیام میں مزید 3 ماہ کی عبوری توسیع کا فیصلہ کرلیا۔

نگراں وزیر اعظم جسٹس ریٹائرڈ ناصرالملک کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا۔

کابینہ نے ملک میں افغان مہاجرین کے قیام میں توسیع سے متعلق معاملے پر بحث کی اور رجسٹرڈ افغان مہاجرین کے قیام میں مزید تین ماہ کی توسیع کا فیصلہ کیا۔

یہ فیصلہ بھی کیا گیا کہ یہ معاملہ آئندہ منتخب ہونے والی حکومت کے سامنے رکھا جائے گا۔

واضح رہے کہ سابق حکومت نے رواں سال مارچ کے آخر میں 14 لاکھ رجسٹرڈ افغان مہاجرین سمیت 23 لاکھ افغان باشندوں کی پاکستان میں قیام کی مدت میں 30 جون تک اضافہ کردیا تھا۔

اس حوالے سے ایک سینئر عہدیدار نے افسران کی ورکشاپ سے خطاب میں کہا کہ رجسٹرڈ کارڈ کے ثبوت رکھنے والے پناہ گزینوں کو 30 جون تک ملک میں رہنے کی اجازت ہوگی اور یہی پالیسی ان کے لیے اپنائی جائے گی جن کے پاس افغان شہری کارڈ ( اے سی سیز) ہوں گے۔

کابینہ نے نیشنل یونیورسٹی آف ٹیکنالوجی کو رولز آف بزنس 1973 کے شیڈول ٹو میں شامل کرنے کی غرض سے ترمیم کی بھی منظوری دی۔

اجلاس میں فنانشل انسٹی ٹیوشن رولز 2018 اور وفاقی تحقیقاتی ادارہ (ایف آئی اے) کو ریکوری آف فنانسز کے تحت درکار تحقیقاتی ادارہ مقرر کرنے کی بھی منظوری دی گئی۔

ریڈیو پاکستان کی رپورٹ کے مطابق کابینہ نے کیپیٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) کے لیے سال 19-2018 کے بجٹ کی منظوری بھی دی۔

نگراں وزیر خزانہ شمشاد اختر نے پیرس میں فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کے ساتھ حالیہ ملاقاتوں کی تفصیلات سے کابینہ کو آگاہ کیا۔

’تحریک انصاف تمام سیاسی جماعتوں کے کوڑے کرکٹ سے انقلاب لانے چلی ہے‘

ٹیکسلا: سابق وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے ن لیگ اور پاکستان تحریک انصاف دونوں جماعتوں کو آڑے ہاتھوں لے لیا۔

ٹیکسلا میں انتخابی جلسے سے خطاب میں چوہدری نثار نے کہا کہ تحریک انصاف تمام سیاسی جماعتوں کے کوڑے کرکٹ سے انقلاب لانے چلی ہے، یہ انقلاب نہیں بلکہ بگاڑ لائیں گے

چوہدری نثار نے کہا کہ عمران خان یاد رکھیں کہ مشکل وقت میں سب سے پہلے پنڈنو شہری والا بھاگے گا، آج جعلی ڈگریوں والے ایم این اے بنے پھرتے ہیں۔

پاکستان مسلم لیگ ن پر تنقید کرتے ہوئے سابق وزیر داخلہ نے کہا کہ ووٹ کے ساتھ ووٹر کو بھی عزت دو، مشرف کی گود میں بیٹھنے والے نے میرے حلقے کو تقسیم کردیا۔

چوہدری نثار نے کہا کہ ’پارٹی کے ساتھ نہیں نوازشریف کے ساتھ اختلاف ہے، میں نے کہا اداروں سےمحاز آرائی نہ کریں۔

انہوں نے کہا کہ میں ہمیشہ سر اٹھا کر کھڑا ہوا، کسی کے پیچھے ہاتھ باندھ کر کھڑا نہیں ہوں گا، نواز شریف کی خاطر 34 سال طوفانوں سے مقابلہ کیا۔

خیال رہے کہ نواز شریف سے اختلافات کی وجہ سے چوہدری نثار نے وزارت داخلہ سے استعفیٰ دے دیا تھا اور اس کے بعد سے پارٹی سے کنارہ کش ہیں۔

ان ہی اختلافات کی وجہ سے چوہدری نثار نے پارٹی ٹکٹ حاصل کرنے کے لیے درخواست نہ دینے کا فیصلہ کیا تھا اور اب وہ آزاد امیدوار کی حیثیت سے الیکشن لڑ رہے ہیں جبکہ الیکشن کمیشن نے انہیں جیپ کا انتخابی نشان الاٹ کردیا ہے۔

ٹکٹوں کی تقسیم کے وقت ایک عذاب سے گزرا ہوں،عمران خان

اسلام آباد: چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کا کہنا ہے کہ ٹکٹوں کی تقسیم کے وقت ایک عذاب سے گزرا ہوں۔

اسلام آباد میں ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا کہنا تھا کہ ٹکٹوں کی تقسیم کے وقت میں ایک عذاب سے گزرا ہوں کیوں کہ ہزاروں امیدوار تھے لیکن ٹکٹ چند سو کو دینا تھا جب کہ خواتین کی مخصوص نشستوں پر ٹکٹ دینا ایک بہت بڑا مسئلہ تھا کیوں کہ ہمیں ایسی خواتین کو ٹکٹ دینا تھا جو قانون جانتی ہوں تاکہ وہ اسمبلی میں پارٹی کی صحیح معنوں میں نمائندگی کرسکیں۔

چیرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ مخالفین نے میرے اوپر 32 مقدمات بنوائے جب کہ اوروں کے ساتھ پتہ نہیں کیا کرتے ہوں گےحالانکہ  شریف فیملی پانامالیکس میں رنگوں ہاتھوں پکڑی گئی  اس کے باوجود یہ لوگ ملک بھر میں رو رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شریف خاندان کا کوئی ایک فرد بھی پاکستان میں علاج نہیں کراتا اور آصف زرداری بھی جہاز پکڑ کر بیرون ملک علاج کرانے چلے جاتے ہیں۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ نواز شریف اور آصف زرداری نے قرضوں کی انتہا کردی، گزشتہ 10 سالوں کے دوران 6 ہزار ارب سے 27 ہزار ارب قرضہ چڑھ گیا ہمارے پاس کون سا اثاثہ ہے جس سے قرضہ اتاریں گے، جب آصف زرداری اور نوازشریف آئےتھے تو ڈالر60 روپے تھا لیکن آج 124 روپے کا ہے، کرپشن تب ختم ہوگی جب وزیراعظم اور وزراء کرپشن نہ کریں۔  انہوں نے کہا کہ اب عوام کا پیسہ عوام پر خرچ کریں گے اور انشاءاللہ میں اس ملک سے ڈبل ٹیکس اکٹھا کرکے دکھاؤں گا جب کہ نیب اور ایف بی آر جیسے اداروں کو بہتر کریں گے۔

عمران خان، نواز شریف کے سیاسی جانشین ہیں، بلاول

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ عمران خان خیر منائیں، ٹکٹوں کی فروخت کا بڑا اسکینڈل سامنے آنے والا ہے۔

عمران خان کے خطاب پر پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا رد عمل سامنے آگیا، ایک بیان میں بلاول بھٹو نے کہا کہ عمران خان خیر منائیں، ٹکٹوں کی فروخت کا بڑا اسکینڈل سامنے آنے والا ہے۔

بلاول نے کہا کہ کرپشن کی دولت پر چلنے والے آج کرپشن پر بھاشن دے رہے ہیں، خیبر پختونخوا میں احتساب کے ادارے کو ختم کرنے والا کس منہ سے کرپشن پر بات کر رہا ہے۔

بلاول نے کہا کہ عمران خان، نواز شریف کی توسیع اور سیاسی جانشین ہیں۔

علاوہ ازیں بلاول نے انتخابی مہم کا آغاز کلفٹن میں عبداللہ شاہ غازی کی مزار پر حاضری سے کیا۔ اس موقع پر انہیں اجرک بھی پیش کی گئی۔ صورتحال اُس وقت بدمزہ ہوئی جب ایک شخص نے بلاول بھٹو کا بوسہ لینے کی کوشش کی۔

بلاول بھٹو عبداللہ شاہ غازی کے مزار سے لیاری پہنچے جہاں انہوں نے چاکیواڑہ میں این اے 246 کے مرکزی الیکشن آفس کا افتتاح کیا۔

بلاول بھٹونے کہا کہ حلقے کے عوام اُن کا ساتھ دیں، وہ ان کے دیرینہ مسائل حل کرکے دِکھائیں گے۔ بلاول زرداری کی تقریر کے دوران جیالوں کی جانب سے ’وزيراعظم بلاول بھٹو‘ کے نعرے لگائے گئے۔

بلاول کے ہمراہ مراد علی شاہ، شیری رحمان اور سعید غنی بھی موجود تھے۔ چیئرمین پیپلز پارٹی نے دورے کے دوران گڈانی میں ڈوب کر جاں بحق شہریوں کے ورثاء سے تعزیت بھی کی جبکہ کھارادر میں محمد شاہ سبزواری کے مزار پر بھی حاضری دی۔

پارٹی کا کپتان میں ہوں لیکن سلیکٹرکوئی اور ہے، فاروق ستار

کراچی: ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما فاروق ستار کا کہنا ہے کہ پارٹی کا کپتان میں ہوں لیکن سلیکٹر کوئی اور ہے۔

کراچی میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے فاروق ستار نے کہا کہ پارٹی کا کپتان میں ہوں لیکن سلیکٹر کوئی اور ہے، ٹکٹوں کی سلیکشن میں میرا کوئی کردار نہیں، خالد مقبول اور رابطہ کمیٹی نے امیدواروں کا انتخاب کیا ہے، میرے ساتھ جو لوگ تھے میں نے ان کی لسٹ دے دی تھی، اب ان میں کتنے منتخب ہوئے اس کا نہیں پتا۔ میں تو اب بھی الیکشن لڑنے سے منع کررہا ہوں، میں خوشی سے الیکشن نہیں لڑوں گا، میرا ذاتی فیصلہ عوام اور کارکنان کے سامنے ہے،  رابطہ کمیٹی نے کہا ہےکہ پتنگ کے لیے اور الیکشن میں جان ڈالنے کے لیے آپ کا ہونا ضروری ہے۔

میڈیا سے گفتگو کے دوران ایک شہری نے فاروق ستار کو کراچی کا امن اور پانی کی عدم فراہمی کا ذمے دار ٹھہرایا تو  فاروق ستار نے ساری ذمہ داری پیپلز پارٹی پر ڈالتے ہوئے کہا کہ میں نے اپنے حلقے میں نکاسی آب کی بہتری کے لئے بہت کام کیا لیکن ایک ریاستی جبر اور آپریشن ہم پر مسلط کیا گیا۔ کراچی کی آبادی کو صحیح نہیں گنا گیا، شہر میں دوبارہ مردم شماری ہونی چاہیے اور شہریوں کو حقوق ملنے چاہئیں، کراچی میں قومی اسمبلی کی 21 کے بجائے 40 اور صوبائی کی 40 کی بجائے 80 نشستیں ہونی چاہئیں۔

’چیف جسٹس کو دوسروں کے پیسوں سے کالا باغ ڈیم بنانے کا کوئی حق نہیں‘

قومی اسمبلی کے سابق اپوزیشن لیڈر اور پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے سینئر رہنما سید خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ چیف جسٹس کو کوئی حق نہیں کہ وہ کالا باغ ڈیم کسی اور کے پیسوں سے بنائیں، یہ کام ان کے دائرہ قانون میں نہیں آتا،چیف جسٹس کو عوام کی سہولت کے لیے کام کرنا چاہیے۔

سکھر پریس کلب میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سید خورشید شاہ نے کہا کہ ’اب عدالتیں بھی ایسی ہوگئی ہیں کہ ججز عدالتوں میں جارہے ہیں اور موبائل پھینک رہے ہیں، پیپلز پارٹی مضبوط فیڈریشن چاہتی ہے لیکن چیف جسٹس کا اس میں کوئی کام نہیں کہ وہ قومی معاملات دیکھیں۔‘

انہوں نے کہا کہ ’بار بار کہتا ہوں کہ چیف جسٹس عدالت میں بیٹھ کر لوگوں کو انصاف فراہم کریں، لاکھوں کیسز زیر التوا ہیں، کئی فائلوں کو دیمک کھا گئی ہے، چیف جسٹس عوام کو انصاف فراہم کریں، عوام ان کے احسان مند رہیں گے۔‘

واضح رہے کہ چیف جسٹس ثاقب نثار نے قرضہ معافی کیس کی سماعت کے دوران ریمارکس دیئے تھے کہ فوری طور پر 2 ڈیمز کی تعمیر پر اتفاق رائے ہو گیا ہے، گزشتہ چند دنوں میں اہم ملاقاتیں کی ہیں، قرضہ معافی کیس میں وصول ہونے والی رقم سے ڈیم بنائیں گے۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ 2 ڈیموں کی تعمیر پر تمام اسٹیک ہولڈرز میں اتفاق رائے ہوگیا ہے، بہت جلد آپ کو ڈیمز کے حوالے سے خوشخبری دوں گا۔

الیکشن سے متعلق خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ ’الیکشن میں تاخیر نہیں ہوگی اور نہ ہی میں الیکشن میں تاخیر ہوتی دیکھ رہا ہوں۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ’صاف و شفاف الیکشن کرانا اب فوج کی ذمہ داری ہے، اگر الیکشن صاف و شفاف نہیں ہوئے تو ایک سوالیہ نشان بن جائے گا۔‘

سابق وزیر اعظم نواز شریف سے متعلق انہوں نے کہا کہ ’وہ جو باتیں کر رہے ہیں یا ان سے کروائی جارہی ہیں اور جس طرح نواز شریف کو مظلوم بنایا جارہا ہے، اس سے ایسا لگ رہا ہے کہ کوئی بڑا گیم کھیلا جارہا ہے۔‘

سید خورشید شاہ نے کہا کہ ’ہمیں اس وقت عوام اور پارلیمنٹ کو لے کر آگے بڑھنا ہوگا، ہمیں جمہوری پارلیمنٹ چاہیے پاکستان خود بن جائے گا۔‘

گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس (جی ڈی اے) سے متعلق سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ ’جی ڈی اے کس کی پیداوار ہے، ضیاء الحق اور مشرف کے ساتھ بیٹھنے والے لوگ آج جی ڈی اے کا حصہ ہیں، وہ پہلے یہ بتائیں کہ انہوں نے سندھ کو دیا کیا ہے۔‘

انہوں نے کہا کہ ’پاک ۔ چین اقتصادی راہداری (سی پیک) پر سیاست نہیں کرنا چاہتے، یہ قوم فیصلہ کرے کہ سی پیک منصوبہ پیپلز پارٹی کا شروع کردہ تھا اور مسلم لیگ (ن) اس کا ڈھول پیٹ رہی ہے، پاکستان پیپلز پارٹی نے ہمیشہ اپنے فائدے کے لیے کوئی کام نہیں کیا، بلکہ عوام کے فائدے کے لیے فیصلے کیے ہیں۔‘

Google Analytics Alternative