Home » 2018 » July » 07 (page 5)

Daily Archives: July 7, 2018

کینیڈا میں شدید گرمی: ہیٹ ویو سے ہلاکتوں کی تعداد 33 ہوگئی

اوٹاوا: کینیڈا میں گزشتہ ایک ہفتے سے جاری ہیٹ ویو کے نتیجے میں ہلاک افراد کی تعداد 33 ہوگئی۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق کینیڈا کے وسطی اور مشرقی علاقے شدید گرمی کی لپیٹ میں ہیں جب کہ صوبہ کیوبک میں درجہ حرارت 45 ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچ گیا جس کے باعث ہلاک افراد کی تعداد 33 ہوگئی۔

صوبہ کیوبک کے سب سے بڑے شہر مونٹریئل میں سب سے زیادہ 18 ہلاکتیں ہوئیں جہاں درجہ حرارت 45 ڈگری سینٹی گریڈ رہا جب کہ حکومت کی جانب سے شہریوں کو پہلے ہی ہیٹ ویو سے خبردار کردیا گیا تھا۔

سٹی پبلک ہیلتھ ڈیپارٹمنٹ کا کہنا ہے کہ زیادہ تراموات مردوں کی ہوئیں جن کی عمریں 53 سے 85 سال کے درمیان تھیں جبکہ مرنے والوں میں بیشتر وہ ہیں جو گھر کی بالائی منزل پر بغیر ایئرکنڈیشنڈ کے رہائش پذیر تھے۔

محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ ہیٹ ویوی سے متاثر ہونے والے علاقوں میں صوبہ کیوبک کے جنوبی حصے، صوبہ اونٹاریو اور بحراوقیانوس کے علاقے شامل ہیں جب کہ ہیٹ ویو کا آغاز 29 جون سے شروع ہوا جو جلد ختم ہوجائے گا۔

’میں محمد رفیع تو نہیں بن سکتا،لیکن اپنی بیٹی کو لتا منگیشکر بنا کر رہوں گا‘

بولی وڈ اداکار انیل کپور، ایشوریا رائے اور راج کمار راؤ کی فلم ’فنے خان‘ کا پہلا ٹریلر آج ریلیز کردیا گیا، جس کی کہانی نہایت دلچسپ نظر آرہی ہے۔

2 منٹ 41 سیکنڈ دورانیے پر مبنی اس ٹریلر میں دکھایا گیا کہ انیل کپور گلوکار بننے میں ناکام ہونے کے بعد ٹیکسی چلاتے ہیں، انہوں نے اپنی بیٹی کا نام لتا رکھا ہے، جو گلوکارہ بننے کی خواہش رکھتی ہے تاہم اپنے موٹاپے کی وجہ سے اسے لوگوں کی تنقید اور مذاق کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

بیٹی کو گلوکارہ بنانے کی جدوجہد میں انیل کپور کامیاب پاپ اسٹار (ایشوریا رائے) کو اپنے دوست (راج کمار راؤ) کے ساتھ مل کر اغواء کرتے ہیں۔

تاہم بعد ازاں ایشوریا اور راج کمار راؤ ایک دوسرے کو پسند کرنے لگیں گے۔

آگے کیا ہوگا اور کیا انیل اپنے مقصد میں کامیاب ہو پائیں گے، یہ جاننے کے لیے فلم کی ریلیز کا انتظار کرنا ہوگا۔

انیل کپور نے فلم کے ٹریلر کو اپنے ٹوئٹر پر بھی شیئر کیا، اس ٹویٹ میں انہوں نے لکھا کہ ’ایک پے راز اور دوسرا فنے خان کا انداز، کیا ہوں گے اس کے سپنے پورے؟

خیال رہے کہ بولی وڈ کی آنے والی رومانٹک کامیڈی فلم ’فنے خان‘ کا پہلا ٹیزر ٹریلر جاری کیا گیا تھا۔

پروڈیوسر راکیش اوم پرکاش مہرا اور انیل کپور کی اس فلم کی ہدایات اتل منجریکر نے دی ہیں۔

فلم میں ایشوریا رائے اور انیل کپور 18 سال بعد ایک ساتھ نظر آئیں گے، تاہم اطلاعات ہیں کہ اس بار وہ ایک دوسرے کے ساتھ رومانس کرتے دکھائی نہیں دیں گے۔

ایشوریا رائے اور انیل کپور کی ایک ساتھ آخری فلم ’ہمارا دل آپ کے پاس ہے‘ 2000 میں ریلیز ہوئی تھی، اس سے قبل وہ 1999 میں دونوں نے ’تال‘ میں بھی ایک ساتھ کام کیا تھا، جس میں دونوں کی جوڑی کو سراہا گیا۔

’دل یہ بے چین وے‘ اور ’آپ کا دل ہمارے پاس ہے‘ جیسے مقبول گانوں کے ذریعے کئی عرصے تک شائقین کے دلوں پر راج کرنے والی جوڑی ایک بار پھر 18 برس بعد میوزیکل رومانٹک کامیڈی فلم میں جلوہ بکھیرتے نظر آئے گی.

فلم کے ٹیزر ٹریلر کو دیکھ کر اندازہ ہوتا ہے کہ انیل کپور، ایشوریا رائے اور راج کمار راؤ تینوں ہی آرٹ، رقص و موسیقی کے دلدادہ ہیں، جو اپنی اپنی دنیا میں مگن رہتے ہیں۔

’فنے خان‘ کو رواں برس 3 اگست کو ریلیز کیا جائے گا۔

خیال رہے کہ یہ فلم بیلجیم کی 18 سال قبل یعنی 2000 میں ریلیز ہونے والی رومانٹک کامیڈی فلم ’ایوری باڈیز فیمس‘ کا آفیشل ریمیک ہے۔

پاک افغان پر امن تعلقات خطے کیلئے ضروری

 

Naghma habib

پاکستان اور افغانستان دو پڑوسی مسلمان ممالک ہیں لیکن حیرت انگیز طور پر حکومتی سطح پر زیادہ تر دونوں کے تعلقات کشیدہ ہی رہے ہیں۔ عوامی طور پر بھی اکثر اوقات خانہ جنگی کے شکار اس ملک کے عوام کو جب پناہ کی ضرورت محسوس ہوتی ہے تو پاکستان کی طرف دوڑتے ہیں اور جب دوران جنگ ذرا دم لیتے ہیں تو ان میں ایک طبقہ پاکستان کے خلاف بولنے لگ جاتا ہے اور پھر ایک نئی خانہ جنگی میں الجھ جاتے ہیں اور اپنی اس جنگجویانہ فطرت پر انتہائی فخر محسوس کرتے ہیں یعنی ان کے لیے قابل فخر امن نہیں جنگ ہے لیکن حیرت ہے یہی افغان قوم جو اپنے ملک اور اپنی زمین کو نہیں سنبھال سکتی وہ پاکستان کے ایک پورے صوبے اور بہت بڑے حصے پر اپنا حق جتا نے لگتی ہے اور لر او بر یو افغان یعنی یہاں سے وہاں تک ایک افغان کا نعرہ لگانے لگ جاتے ہیں کوئی ان سے یہ پوچھے کہ افغان تو افغانستان کے اندر بھی ایک نہیں یہ تو وہاں بھی الجھے رہتے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ آج کی جدید دنیا میں بھی آپ کو افغانستان میں نہ تو وہ سہولتیں نظر آتی ہیں جو باقی دنیا کو میسر ہیں اور نہ ہی وہاں کے عام شہری باقی دنیا کے مقابلے پر کھڑے ہو سکتے ہیں۔ ان کا تعلیمی معیار باقی دنیا کے مقابلے میں بہت کم ہے ان کے ہاں صحت، رسل و رسائل شہری سہولیات سب تباہ حال ہیں پشتون اور دری ازبک تاجک سب ایک دوسرے سے ناراض اور انتہائی دور ہیں بلکہ یوں کہیے کہ پوری افغان قوم ایک دوسرے کے خلاف صف آرا ہے۔ مجھے اس صورت حال پر کوئی خوشی نہیں بلکہ دکھ اور تشویش ہے دکھ اس لیے کہ یہ سب میرے مسلمان بہن بھائی ہیں افغانستان ہمارا برادر اسلامی ملک ہے اور ایک نمایاں اور شاندار اسلامی تاریخ رکھتا ہے اس زمین نے کئی عظیم علما اور شخصیات کو جنم دیا جن کا علم و فضل اسلامی دنیا کے لیے باعث فخر ہے اور تشویش مجھے اس لیے ہے کہ پاکستان میں بدامنی کی ایک بڑی وجہ افغانستان میں بدامنی ہے اگر ہماری حکومت اور عسکری قیادت کہہ رہی ہے کہ پر امن افغانستان پاکستان کے حق میں ہے تو افغان حکومت اور قیادت کو اس بات میں چھپے خلوص کو مان لینا چاہیے لیکن ہو یہ رہا ہے کہ افغانستان پاکستان کا برادر اسلامی ملک ہوتے ہوئے مسلم دشمن بھارت کے دائرہ اثر میں ہے وہاں سے ہدایات وصول کرتا ہے اور بڑی تابعداری سے ان پر عمل کرتا ہے اپنی زمین بھارتی مقاصد کے لیے پاکستان کے خلاف استعمال کرتا ہے پاکستان کو مطلوب دہشت گردوں کو پناہ دیتا ہے ان کی تر بیت کرتا ہے اور پاکستان بھیج کر معصوم لوگوں کاقتل عام کرتا ہے اس کے ہاں امریکہ بھی حملہ کرے اور حالیہ حملے کی طرح مدرسے کے معصوم طلبا اور اساتذہ کوشہید کرے

تو انتقاما وہ پاکستان میں حملہ آور ہوتا ہے ۔یہ تو وہ دہشت گرد کاروائیاں ہیں جو اس نے پچھلے بیس سال سے جاری رکھی ہوئی ہیں اور اس کی وجہ وہ ان کے ملک میں پاکستانی مداخلت بتاتے ہیں لیکن پاکستان بنتے ہی کونسی گستاخیاں تھیں جو پاکستان سے سرزد ہوئیں کہ خود کو اسلام کے بڑے علمبردار کہنے کے باوجود ایک اسلامی ملک کو تسلیم کرنے سے انکار کیا ،کبھی فاٹا کبھی خیبر پختونخواہ اور کبھی بلوچستان میں مسائل پیدا کرتا رہا وہ کبھی پشتونستان کا نعرہ لگواتا ہے اورکبھی گریٹر بلوچستان کو ہوا دینے کی کوشش کرتا ہے۔ بین الا قوامی سرحد کو پھلانگتا ہوا اٹک تک کا دعوے دار بننے کی کوشش کرتا ہے ڈیورنڈ لائن کے معاہدے پر اس کے حکمرانوں کے دستخط موجود ہیں۔ 1893 سے 21 19 تک تین بار افغان حکمرانوں نے اس معاہدے پر دستخط کیے لیکن اب بھی جب کسی افغان حکمران کا دل چاہے اس سرحد کو مٹانے کی بات کرنے لگ جاتا ہے اور افسوس اس بات کا ہے کہ پاکستان کے اندر سے انہیں کچھ بکاؤ مال مل ہی جاتا ہے ۔ویسے بیس کروڑ میں کچھ ایسے لوگوں کا مل جا نا کچھ اچھنبے کی بات نہیں اور یہی جو اپنی زمین اور اپنے آپ سے وفا کرنے کے قابل نہیں ہوتے اپنی اٹھارویں پشت کے افغان جدِامجد سے وفا شروع کر دیتے ہیں مگر بات یہ ہے کہ افغانستان کبھی بھی ایک مستحکم اکائی نہیں رہا مختلف قبائل اور سردار مختلف علاقوں کے حاکم تھے اور آپس میں باہم دست وگریباں رہے ہیں۔ سوال یہ ہے کہ کیا اس وقت بھی یہ پاکستان کی شرارت تھی قبائلی زندگی کے عادی یہ افغان ایک مرکزی حکومت کے تحت مشکل ہی سے رہ سکتے ہیں اگرچہ ان کے لیے دعا ہے کہ وہ ایسا کرسکیں اور اپنی سرحدوں کے اندر پر امن زندگی گزار سکیں اور ساتھ وہ حقائق قبول کر سکیں جن کے اوپر ان کے بزرگوں نے دستخط کیے ہیں۔ڈیورنڈ کی لکیر کھینچ کر اس وقت کے ہندوستان کے انگریز حکمرانوں کے فیصلے کو مان لیا تھا کہ افغان حکومت اپنے آپ کو اس لکیر کے اس طرف کے علاقے کا حقدار سمجھے گی اِس طرف یعنی موجودہ پاکستان کی طرف اس کی کوئی دخل اندازی نہیں ہو گی ۔2430 کلومیٹر کی یہ سرحد بین الاقوامی سرحد کی ہر تعریف کے مطابق ایک بین ا لا قوامی سرحد ہے یہ اس وقت کی دونوں حکومتوں سے تسلیم شدہ تھی اور ایک نئی بننے والی ریاست تک اسی صورت میں منتقل ہوئی جس کو دونوں حکومتوں میں سے کسی نے نہ چھیڑا اور ویانا کنونشن کے مطابق ایسی سرحد ایک بین ا لاقومی سرحد تسلیم کی جائے گی اور ایک پارٹی کے انکارسے اس کی صحت پر کوئی فرق نہیں پڑے گا۔اس فیصلے کو اس وقت اس صوبے کے عوام نے ریفرنڈم میں پاکستان کے حق میں ووٹ دے کر مزید مضبوط کیا ورنہ جو لوگ آج بھی افغان حکمرانوں کی آواز میں اپنی دبی دبی زیرلب آواز شامل کرتے ہیں ان کے آباواجداد نے اس وقت بھی ایڑی چوٹی کا زور لگا کر اسے بدلنے کی کوشش کی تھی۔افغان حکمرانوں کو نوشتہ دیوار پڑھ لینا چاہیے اور اپنے آقا بھارت کی طرح پاکستان کے اندر مداخلت کا وطیرہ چھوڑ دینا چاہیے، انہیں یہ یاد رکھنا چاہیے کہ پاکستان ایک مستحکم ر یاست اور مملکت ہے افغانستان کی طرح بکھرے ہوئے قبائل نہیں لہذا وہ تسلیم کر لے کہ غلطی خود اس کے اندر ہے اگر وہ اپنے عوام کو جدید دنیا کی شہری ضروریات اور سہولیات فراہم کرے تو وہ پاکستان میں مہاجر کی زندگی گزارنے کی بجائے اپنے ملک میں رہنے کو ترجیح دیں گے اور ایسا تب ہی ممکن ہے جب افغان حکمران دہشت گردی کی ترویج سے توجہ ہٹا کر اپنے ملک کی ترقی پر اپنی توجہ مرکوز کر دے اگر وہ یہ سمجھتے رہیں کہ بھارت یا امریکہ کے کام سے ان کا ملک ترقی کرے گا تو یاد رکھے کہ قومیں اپنے زورِبازو سے عظیم بنتی ہیں دوسرے اپنے مفادات کے لیے آپ کے ملک میں آتے ہیں اور یہ بھی کہ آپ دوست دشمن کی پہچان کریں،پاکستان ہر مشکل میں افغانستان کے لیے سہارا اور پناہ گاہ بنا ہے اور مستقبل میں بھی دونوں ملکوں کے تعلقات امن اور ترقی کا باعث بنیں گے لہٰذا معاملات کو بگاڑیں نہیں سدھاریں۔

’نمستے انگلینڈ‘ میں عاطف اسلم اور راحت فتح علی خان کی آواز

پاکستانی گلوکار راحت فتح علی خان اور عاطف اسلم صرف اپنے ملک میں ہی نہیں بلکہ دنیا بھر میں کافی مقبول ہیں، جن کی گلوکاری بولی وڈ میں بھی بےحد پسند کی جاتی ہے۔

اور اب یہ دونوں نامور گلوکار بولی وڈ کی جلد ریلیز ہونے والی فلم ’نمستے انگلینڈ‘ میں گانے گائیں گے۔

میوزک کمپوزر منن شاہ کا کہنا تھا کہ ’عاطف اسلم ہمیشہ سے میرے پسندیدہ گلوکار رہے ہیں جنہوں نے کئی رومانوی گانے گائے، تیرے لیے گانے کی پہلی پسند بھی عاطف اسلم ہی تھے، جاوید صاحب نے اس گانے کو خوبصورت انداز میں تحریر کیا اور یہ میرا پسندیدہ گانا ہے‘۔

’تیرے لیے‘ گانے کی ویڈیو کی شوٹنگ لندن میں کی گئی۔

فلم میں راحت فتح علی خان کی جانب سے گائے گئے گانے پر منن نے کہا کہ ’یہ میرے لیے اعزاز کی بات ہے کہ گانا تو میری میں تیرا راحت صاحب نے گایا، میں ہمیشہ سے ان کی آواز کا مداح رہا ہوں‘۔

’تو میری میں تیرا‘ گانے کی شوٹنگ اس وقت دبئی میں جاری ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ’ہم نے راحت صاحب کے گانے کے ساتھ کچھ الگ اسٹائل اپنایا ہے، جس کا انہوں نے بھی پہلی بار تجربہ کیا، وہ بھی کچھ نیا گانے کے لیے کافی پرجوش تھے‘۔

یاد رہے کہ ’نمستے انگلینڈ‘ رومانوی کامیڈی فلم ہے، جس میں پرینیتی چوپڑا اور ارجن کپور مرکزی کردار ادا کرتے نظر آئیں گے۔

یہ فلم 2007 میں ریلیز ہوئی فلم ’نمستے لندن‘ کا سیکوئل ہے، نمستے لندن میں اکشے کمار اور کترینہ کیف نے اہم کردار ادا کیے تھے۔

فلم ’نمستے انگلینڈ‘ رواں سال 19 اکتوبر کو سینما گھروں میں ریلیز ہوگی۔

این ایچ اے، ٹول ٹیکس کی مد میں25 ارب کا ریونیو وصول

اسلام آباد: نیشنل ہائی وے اتھارٹی (این ایچ اے) نے مالی سال 2017-18 کے دوران ٹول ٹیکس کی مد میں 25 ارب روپے سے زائد ریونیو وصولیوں کا ہدف حاصل کر لیا ہے جبکہ نیشنل ہائی وے اتھارٹی کی جانب سے گزشتہ 5 سال کے دوران ٹول ریونیو کی مد میں 9ارب روپے تک اضافہ ہوا ہے۔

ملک بھر میں مختلف قومی شاہراہوں، ہائی ویز، موٹرویز، اسٹریٹجک روڈز اور پلوں کے 119 مقامات پر ٹول پلازے قائم ہیں، ان ٹول پلازوں میں 30ٹول پلازے قومی شاہراہ این5  پرجبکہ مکران ساحلی شاہراہ پرلیاری زیرو پوائنٹ کے مقام پر، کراچی کوئٹہ چمن شاہراہ پر، حب اور شاہراہ قراقرم پر حسن ابدال کے مقامات پر ٹول پلازے قائم ہیں۔

اسی طرح این 40 پر نوشہرہ اوراین 50 پر ڈیرہ اسماعیل خان کے مقام پر بھی ٹول پلازے قائم کیے گئے ہیں۔ انڈس ہائی وے پراین 14، 65 اور این70 پر تین تین ٹول پلازے قائم کیے گئے ہیں۔ اسی طرح اسلام آباد۔ مری شاہراہ پر بھی ایک ٹول پلازہ قائم ہے جبکہ ترنول۔ کوہاٹ سڑک پر قطبال اور جنڈ کے مقامات، لیاری ایکسپریس وے پردو، گوادر ۔ رتو ڈیرو موٹروے اور کراچی ناردرن بائی پاس پر ایک ایک ٹول پلازہ قائم کیا گیا ہے لاہور۔ اسلام آباد موٹروے پر20 اسلام آباد۔ پشاور موٹروے پر 13 پنڈی بھٹیاں۔ فیصل آباد موٹروے پر4 فیصل آباد گوجرہ موٹروے پر تین، خانیوال ملتان موٹروے پر 4اور کراچی حیدر آباد موٹروے پر 3 ٹول پلازوں سمیت ملک بھر میں قائم دیگر ٹول پلا زے قومی شاہراہوں پر چلنے والی ٹریفک سے ٹول ریونیو اکٹھا کرتے ہیں جو ریونیو اسٹرٹیجک اہمیت کی حامل ان شاہراہوں کی تعمیر و مرمت کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔

ذرائع کے مطابق مالی سال 2012-13کے دوران این ایچ اے نے ٹول ریونیو کی مد میں 16ارب روپے تک ریونیو حاصل کیا تھا جو کہ گزشتہ پانچ سال کے دوران بڑھتے ہوئے گزشتہ مالی سال 2017-18 کے دوران 25ارب روپے تک پہنچ چکا ہے۔

 

اوپو اے 5 اسمارٹ فون کی تصاویر سامنے آگئیں‎

اوپو اے 5 اسمارٹ فون کی تصاویر اور تفصیلات جاری کردی گئی ہیں۔ فون کی پشت پر ڈوئل کیمرہ اور فرنٹ پر ڈسپلے میں نوچ شامل کیا گیا ہے۔ فون سے متعلق سامنے آنے والی تفصیلات کے مطابق اس فون میں 6.2 انچ ڈسپلے اور اسنیپ ڈریگن 450 پروسیسر دیا جائے گا۔ فون کو 3 جی بی اور 4 جی بی ریم کے ساتھ 64 جی بی اسٹوریج کے آپشن میں پیش کیا جائے گا۔ کیمرہ سیٹ اپ میں پشت پر 13 میگاپکسل اور 2 میگا پکسل اور فرنٹ پر 8 میگا پکسل کا کیمرہ شامل ہوگا۔ فون کی بیٹری 4100 ملی ایمپیئر آورز کی ہونے کا امکان ہے۔

 

شاہین شاہ آفریدی آسٹریلوی پاور ہٹرز کو لگام ڈالنے پر مسرور

ہرارے: شاہین شاہ آفریدی آسٹریلوی پاور ہٹرز کو لگام ڈالنے پر مسرور ہیں.

سہ ملکی ٹی ٹوئنٹی سیریز کے میچ میں شاندار کارکردگی دکھانے والے نوجوان پیسر کا کہنا ہے کہ ایرون فنچ اور گلین میکسویل خطرناک بیٹسمین ہیں،دونوں کو جلد آؤٹ کرنے کیلیے بولنگ کوچ اظہر محمود نے ہدایات دیں،ان کو پیش نظر رکھتے ہوئے میں نے کوشش کی اور کامیاب رہا، فائنل میں ایرون فنچ پر قابو پانے کا عزم لیے بولنگ کروں گا۔

شاہین آفریدی نے کہا کہ پی ایس ایل میں اسٹار کرکٹرز کے ساتھ میچزکھیلنے کا یہ فائدہ ہواکہ انٹرنیشنل کرکٹ میں کوئی اضافی دباؤ نہیں ہوتا،آسٹریلوی ٹیم میں بڑے نام ہونے کے باوجود کوئی گھبراہٹ نہیں تھی.

ایک سوال پر شاہین نے کہا کہ میدان میں سردی بہت تھی لیکن مناسب وارم اپ کی وجہ سے مشکلات پیش نہیں آئیں۔

لندن میں امریکی صدر کے استقبال کے لیے 20 فٹ طویل کارٹون غبارہ تیار

لندن:لندن کے میئر صادق خان نے شہریوں کی درخواست قبول کرتے ہوئے امریکی صدر کی آمد پر ڈونلڈ ٹرمپ کی شباہت والا غبارہ اُڑانے کی اجازت دے دی ہے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق 13 جولائی کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی لندن آمد پر برٹش پارلیمنٹ اسکوائر کے اوپر ڈونلڈ ٹرمپ کی شکل والا کارٹون غبارہ فضا میں بلند کیا جائے گا۔ میئر صادق خان نے نجی تنظیم کی درخواست پر غبارہ اُڑانے کی اجازت دے دی ہے۔ نجی تنظیم اس موقع پر ’ ٹرمپ کو روکو‘ ریلی کا انعقاد بھی کرے گی۔

Trump 3

ٹرمپ کی شکل والے غبارے کو اُڑانے کی اجازت حاصل کرنے کے لیے مہم میں  10 ہزار لوگوں نے دستخط کیے اور اس کی تیاری میں 20 ہزار ڈالر خرچ ہوئے۔ جس کے بعد لندن کے میئر صادق خان نے اس غبارے کو اُڑانے کی اجازت دے دی ہے۔ یہ غبارہ پارلیمنٹ اسکوائر سے ساڑھے نو بجے سے ساڑھے گیارہ بجے کے دوران اُڑایا جائے گا۔ 20 فٹ طویل غبارے کا رنگ ٹرمپ کے بالوں کے رنگ کی مانند زرد ہے جس میں ٹرمپ کو ناراض اور پیمپر پہنے دکھایا گیا ہے۔

Trump 2

واضح رہے کہ گزشتہ برس بھی 1.8 ملین افراد نے آن لائن پٹیشن پر دستخط کیے تھے جس میں ڈونلڈ ٹرمپ کے دورۂ برطانیہ کو منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا گیا تھا۔ علاوہ ازیں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو مہاجرین اور پناہ گزینوں کے حوالے سے متنازع پالیسی کے باعث بھی برطانوی عوام کے غم وغصے کا سامنا ہے۔

Google Analytics Alternative