تازہ ترین
Home » 2018 » August » 04

Daily Archives: August 4, 2018

گردشی قرضوں کی خلافِ ضابطہ ادائیگی پر اسحاق ڈار کے خلاف تفتیش کی منظوری

 اسلام آباد: نیب نے 2013 میں گردشی قرضوں کی مد میں 480 ارب روپے کی خلافِ ضابطہ ادائیگی پر سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے خلاف تفتیش کی منظوری دے دی ہے۔

چیئرمین جاوید اقبال کی زیرِ صدارت  نیب ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں 2013 میں گردشی قرضوں کو ختم کرنے کے لئے 480 ارب روپے خلافِ ضابطہ ادائیگی پرحکومتی عہدیداروں و دیگر کے خلاف انکوائری کی منظوری دی گئی۔

انوشہ رحمان کیخلاف بھی انکوائری کی منظوری 

اعلامیے کے مطابق جن افراد کے خلاف انکوائری کی منظوری دی گئی ان میں سابق وزیرِخزانہ اسحاق ڈار اور سابق وزیرِ مملکت برائے آئی ٹی انوشہ رحمان شامل ہیں جب کہ (ن) لیگ کے دونوں سابق وزرائے اعظم نوازشریف اور شاہد خاقان عباسی کے سابق پرنسپل سیکرٹری فواد حسن فواد کے خلاف بدعنوانی کی انکوائری شروع کرنے کی بھی منظوری دی گئی ہے، نیب کے مطابق فواد حسن فواد پر اختیارات کے ناجائز استعمال، مبینہ بدعنوانی اور قومی خزانے کو بھاری نقصان پہنچانے کا الزام ہے۔

منی لانڈرنگ اور غیر قانونی اثاثے بنانے کی انکوائری کا حکم 

اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ اجلاس میں منی لانڈرنگ، دبئی میں 1 کھرب 10 ارب روپے مالیت کے غیرقانونی اثاثے بنانے کے معاملے کی انکوائری کا حکم دیا گیا۔ جن دیگر افراد کے خلاف چھان بین کی منظوری دی گئی، ان میں سابق چیئرمین پی ٹی اے اسماعیل شاہ، سابق ڈائریکٹر لوک ورثہ عکسی مفتی اور روبینہ خالد، بدعنوانی اور اختیارات کے ناجائز استعمال کی شکایت پر ناردرن پاورپلانٹ گوجرانوالہ کےافسران، نیلم جہلم پروجیکٹ کی انتظامیہ، پنجاب کارڈیالوجی کےافسران،حکومت پنجاب و دیگر، بی آر ٹی پشاور پروجیکٹ کے افسران، غیرقانونی طور پر رقم کی بیرون ملک منتقلی کرنے والے پاکستانی، اوورسیز پاکستانی اورسرمایہ کار شامل ہیں۔

عدم تعاون پر سابق ڈی جی اینٹی کرپشن پنجاب مظفر علی رانجھا، اور سابق صوبائی وزیربلوچستان صادق علی عمرانی کے خلاف انکوائری کی منظوری بھی دی گئی ہے۔

’’ کرپشن فری پاکستان کے لیے بھرپورکاوشیں کررہے ہیں ‘‘

اعلامیے میں جن افراد کے خلاف تحقیقات کی منظوری دی گئی ان میں سابق ڈائریکٹرفنانس ایرا، سابق ڈائریکٹرفنانس پی ایچ اے اور سابق چیف فنانشل آفیسرپنجاب پاورڈیولپمنٹ کمپنی اکرم نوید شامل ہیں۔  اجلاس میں چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کا کہنا تھا کہ بدعنوانی ایک کینسر ہے جسے جڑ سے اکھاڑ پھینکنا انتہائی  ضروری ہے، کرپشن فری پاکستان کے لیے بھرپورکاوشیں کررہے ہیں۔

پی ٹی آئی، ایم کیو ایم کا حکومت سازی کیلئے تحریری معاہدے کا اعلان

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) اور متحدہ قومی موومنٹ ( ایم کیو ایم ) پاکستان نے مرکز میں حکومت سازی کے لیے اتحاد کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ کراچی آپریشن کا جائزہ لیا جائے گا اور دھاندلی کے شکایات والے حلقوں کو کھولنے میں ایک دوسرے کا ساتھ دیا جائے گا۔

اسلام آباد میں پی ٹی آئی اور ایم کیو ایم رہنماؤں نے اجلاس کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس میں کہا کہ حکومت سازی کے لیے ساتھ دینے کا فیصلہ ہوا ہے۔

پی ٹی آئی رہنما جہانگیر ترین کا کہنا تھا کہ ‘مجھے ایم کیو ایم سے مکمل طور پر معاہدے کا اعلان کرتے ہوئے خوشی ہے اور ہمارا منشور میں موثر بلدیاتی اداروں کا ذکر موجود ہے اور منشور کے مطابق ایم کیو ایم کی پٹیشنز پر تعاون کریں گے تاکہ ایک آئینی ضرورت پوری ہوسکے’۔

ممکنہ حکومت میں شمولیت پر ایم کیو ایم کو خوش آمدید کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کراچی کے عوام نے بھرپور طریقے سے نکل کرتحریک انصاف اور ایم کیو ایم کو ووٹ دیا جبکہ دیگر جماعتوں کو مسترد کردیا۔

جہانگیر ترین کا کہنا تھا کہ ہم نے کراچی کے مسائل پر بات چیت کی ہے اور ہم شہر قائد کے لیے فنڈز بھی دیں گے اور حیدرآباد میں ایک جامعہ بھی بنائیں گے۔

اس موقع پر ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینر خالد مقبول صدیقی کا کہنا تھا کہ ایک بہتر پاکستان اختیارات کو نچلی سطح تک لے جانے سے جڑا ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سندھ کے شہری علاقوں کی ضروریات کو پورا کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور دونوں جماعتوں نے ایک ساتھ آگے بڑھنے کا بھی فیصلہ کیا ہے۔

—فوٹو بشکریہ عمران خان فیس بک پیچ
—فوٹو بشکریہ عمران خان فیس بک پیچ
—فوٹو بشکریہ عمران خان فیس بک پیچ
—فوٹو بشکریہ عمران خان فیس بک پیچ
—فوٹو بشکریہ عمران خان فیس بک پیچ
—فوٹو بشکریہ عمران خان فیس بک پیچ

وفاقی کابینہ میں شامل ہونے سے متعلق انہوں نے کہا کہ ہم اس معاملے پر لائحہ عمل کا اعلان بعد میں کیا جائے گا کیونکہ ہم تحریک انصاف سمیت تمام جماعتوں کے مینڈیٹ کا احترام کرتے ہیں اور امید ہے کہ دیگر جماعتیں بھی ہمارے مینڈیٹ کو تسلیم کریں گے۔

خالد مقبول صدیقی کا کہنا تھا کہ ایم کیو ایم کو بھی تحفظات ہیں لیکن تحریک انصاف کے ساتھ مختلف معاملات پر اتفاق ہوا ہے اور یہی ملک کی ضرورت ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سندھ کے شہری علاقے آج بھی پاکستان کے ریوینیو کا تقریباً 65 سے 70 فیصد دیتے ہیں اس لیے کراچی کی ترقی اور خوش حالی کا مطلب ہے کہ پاکستان کی ترقی و خوش حالی ہے جس کی طرف ہم نے توجہ دی ہے اور جہموریت کے ثمرات عام پاکستانی تک پہنچانے کے لیے آگے ساتھ چلنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ مردم شماری کے بارے میں ہم سپریم کورٹ میں گئے ہیں اس پر بھی پی ٹی آئی نے تعاون کی یقین دہانی کرادی ہے اور خود مختاری بلدیاتی نظام کے لیے بھی ملک کر جدوجہد کریں گے۔

انھوں نے کہا کہ دیگر جماعتوں کی طرح ایم کیو ایم کو بھی شکوک و شبہات ہیں اس لیے ایم کیو ایم جن حلقوں کو کھولنا چاہتی ہے اس پر پی ٹی آئی ہمارا ساتھ دے گی۔

خالد مقبول صدیقی نے پی ٹی آئی سے ہونے والے معاہدے پر بات کرتے ہوئے کہا کہ کراچی آپریشن کے حوالے سے بھی بات ہوئی ہے جس کا جائزہ لے کر منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا اور کہیں حق تلفی ہوئی ہے تو اس کا ازالہ کیا جائے گا۔

قبل ازیں ایم کیو ایم کے وفد نے پی ٹی آئی رہنما جہانگیر ترین سے ملاقات کی اتحاد کے حوالے سے تفصیلی بات چیت کی گئی۔

یاد رہے کہ جہانگیر ترین نے اس سے قبل کراچی میں ایم کیو ایم کے مرکز بہادر میں رہنماؤں سے ملاقات کی تھی جہاں انھوں نے وفاق میں حکومت سازی کے لیے پی ٹی آئی کا ساتھ دینے کی درخواست کی تھی۔

ایم کیو ایم کے کنوینر خالد مقبول صدیقی نے کہا تھا کہ ہم حکومت سازی کے حوالے سے پی ٹی آئی کےساتھ تعاون کریں گے اور اس کے بدلے ایم کیو ایم کو ذاتی اور جماعتی سطح پر کچھ نہیں چاہیے تاہم 30 سال سے جو مینڈینٹ ہے اس کا ازالہ ہونا چاہیں۔

چلاس میں نامعلوم افراد نے 12 تعلیمی اداروں کو نذر آتش کردیا

دیامر: گلگت بلتستان کے ضلع دیامر میں دہشتگردوں نے 12 تعلیمی اداروں پر حملہ کر کے انہیں آگ لگادی۔

دیامر میں چلاس کے علاقے داریل اور تنگی میں جمعرات اور جمعے کی درمیانی شب نامعلوم افراد نے 10 تعلیمی اداروں میں گھس کر توڑ پھوڑ کے بعد انہیں آگ لگادی جب کہ 2 کو تباہ کرنے کے لیے بارودی مواد بھی استعمال کیا۔

پولیس نے ملزمان کی تلاش کے لیے علاقے میں سرچ آپریشن شروع کر دیا ہے۔آئی جی پی گلگت بلتستان ثناء اللہ عباسی، فورس کمانڈر میجر جنرل ثاقب محمود بھی چلاس پہنچ گئے ہیں۔

کمشنر دیامر عبدالوحید شاہ نے ایکسپریس نیوز سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ نامعلوم شرپسندوں نے کچھ زیر تعمیر اسکولوں کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی۔ اسکولوں میں دھماکوں کی اطلاعات درست نہیں۔ نقصانات کا جائزہ لیا جارہا ہے۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری نے چلاس میں گرلز اسکول جلائے جانے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ تعلیمی ادارے جلانا ناقابل معافی جرم ہے، بچیوں کو تعلیم سے روکنا معاشرے پر ظلم ہوگا، اسکول تباہ کرنے والوں کو سخت سزا دی جائے، پیپلز پارٹی خواتین کے حقوق غضب ہونے نہیں دے گی۔

بہت سی قوتیں ڈیم کے مقصد کو پورا نہیں ہونے دینا چاہتیں، چیف جسٹس

اسلام آباد: چیف جسٹس پاکستان ثاقب نثار نے ریمارکس میں کہا ہے کہ بڑے دکھ کے ساتھ کہتا ہوں کہ بہت سی قوتیں ڈیم کے مقصد کو پورا نہیں ہونے دینا چاہتیں تاہم ہمیں ایسے معاملات پر اتفاق رائے پیدا کرنا ہے۔

سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے ادویات کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف از خود نوٹس کیس کی سماعت کی، اس موقع پر ایڈیشنل اٹارنی جنرل ساجد الیاس بھٹی نے عدالت کو بتایا کہ فارماسوٹیکل کمپنیوں نے 2013 سے پہلے از خود قیمتیں بڑھائیں، 2015 کی پالیسی کے تحت 2 ہزار کیسز نمٹائے جب کہ ادویات پر بار کوڈ شائع کرنے کے لیے 2 سال کا وقت دیا گیا ہے۔

چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس میں کہا کہ عدالت پالیسی کے معاملے میں مداخلت نہیں کر سکتی، بار کوڈ کی اشاعت کے لیے فارماسوٹیکل انڈسٹری اور دیگر اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ مل کر عمل درآمد کروائیں، دنیا میں بار کوڈ سسٹم رائج ہے، ادویات کی قیمتوں کے کیس کے بعد ہیپاٹائٹس سی اور گردوں کی بیماریوں کے علاج کے لیے کام کریں گے

چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس میں کہا کہ فارماسوٹیکل کمپنیوں اور دیگر اسٹیک ہولڈرز کی مدد درکار ہوگی، آپ کو اندازہ ہے کہ گلگت بلتستان میں ہیپاٹائٹس سی کے کتنے مریض ہیں، ہیپاٹائٹس سی کے تدارک کے لائحہ عمل کے لیے سیمینار بھی ارینج کریں گے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس میں کہا کہ بڑے دکھ کے ساتھ کہتا ہوں کہ بہت سی قوتیں ڈیم کے مقصد کو پورا نہیں ہونے دینا چاہتیں تاہم ہمیں ایسے معاملات پر اتفاق رائے پیدا کرنا ہے۔

عدالت نے ادویات کی قیمتیں منجمد کرنے اور ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی پاکستان کو ادویات کی قیمتوں سے متعلق کیسز 10 ہفتوں میں نمٹانے کا حکم دیا، عدالت نے حکم میں کہا کہ ڈریپ ادویات پر بار کوڈز شائع کرنے کیلئے فارما سوٹیکل انڈسٹری کے اتفاق رائے سے عمل درآمد کروائے، اس کے علاوہ عدالت نے وفاقی حکومت کو ڈریپ کے مستقل چیف ایگزیکٹو کی تعیناتی کا عمل بھی مکمل کرنے کا حکم دیا۔

جاپان کے سفیر کی عمران خان سے ملاقات، انتخابات جیتنے پر مبارکباد

پاکستان میں تعینات جاپان کے سفیر تاکاشی کورائی نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان سے بنی گالا ملاقات کی اور عام انتخابات 2018 میں ان کی پارٹی کی بہترین کارکردگی پر مبارک باد دی۔

جاپان کے سفیر نے ملاقات میں عمران خان کے لیے نیک تمناؤں کا اظہار اور دوطرفہ دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا۔

واضح رہے کہ 25 جولائی کو عام انتخابات میں تحریک انصاف کی کامیابی کے بعد سے ترکی، بھارت اور افغانستان کے سربراہان کی جانب سے عمران خان کو فون پر مبارکباد دی جاچکی ہے، جبکہ مختلف ممالک کے سفیر بھی چیئرمین پی ٹی آئی سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کرچکے ہیں۔

دو روز قبل برطانوی ہائی کمشنر تھامس ڈریو نے عمران خان سے ان کی رہائش گاہ میں ملاقات کی اور انتخابات میں جیت پر مبارک باد پیش کی۔

برطانوی ہائی کمشنر سے ملاقات میں عمران خان کا کہنا تھا کہ منی لانڈرنگ کے ذریعے برطانیہ منتقل کی گئی دولت کی وطن واپسی ہمارا عزم ہے۔

اس سے قبل ترک صدر رجب طیب اردوان نے عمران خان کو عام انتخابات میں کامیابی پر فون کرکے مبارک باد دی تھی۔

ٹیلیفونک گفتگو میں دونوں رہنماؤں کی جانب سے بھرپور گرم جوشی کا مظاہرہ کیا گیا اور پاکستان اور ترکی کے درمیان تعلقات کے ایک نئے دور کے آغاز پر بھی اتفاق کیا گیا۔

بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی نے عمران خان کو ٹیلی فون کرکے انتخاب میں کامیابی پر مبارکباد پیش کی اور کہا تھا کہ بھارت، پاکستان سے تعلقات میں نئے دور کے آغاز پر تیار ہے تاہم معاملات آگے بڑھانے کے لیے دونوں ممالک کو مشترکہ حکمت عملی اپنانا ہوگی۔

قبل ازیں 29 جولائی کو افغانستان کے صدر اشرف غنی نے پی ٹی آئی چیئرمین کو عام انتخابات میں کامیابی پر مبارک باد دیتے ہوئے افغانستان کے دورے کی دعوت دی تھی۔

اشرف غنی کا کہنا تھا کہ عمران خان، افغانستان میں نہایت مقبول اور نوجوانوں کے ہیرو ہیں اور ان کی مقبولیت کے باعث افغانستان میں کرکٹ کو بھی فروغ ملا ہے۔

چین کے پاکستان میں سفیر یاؤ جنگ نے بھی عمران خان سے بنی گالہ میں ملاقات کی اور انہیں چینی حکومت اور کمیونسٹ پارٹی کی جانب سے عام انتخابات میں کامیابی پر مبارک باد پیش کی تھی۔

چین کے سفیر نے ملاقات میں پاکستان کے انتظامی ڈھانچے میں اصلاحات اور قانون کی بالادستی کے حوالے سے تحریک انصاف کے نظریے کو سراہا اور اس کی حمایت کرنے کا اظہار بھی کیا۔

27 جولائی کو سعودی سفیر نواف بن سعید المالکی نے پی ٹی آئی چیئرمین سے بنی گالا میں ملاقات کی اور انتخابات میں کامیابی پر مبارک باد دی تھی۔

ان کا کہنا تھا کہ انتخابات کے بعد چیئرمین تحریک انصاف کا قوم سے پہلا خطاب نہایت مثبت اور جامع تھا، خطاب میں عمران خان نے سعودی عرب کے بارے میں جن خیالات و جذبات کا اظہار کیا اسے قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔

سعودی سفیر نے یہ بھی کہا کہ اقتدار کی منتقلی مکمل ہوتے ہی سعودی ولی عہد پاکستان کا دورہ کریں گے، یہ دورہ پاکستان کے ساتھ تعلقات کے نئے دور کا آغاز کرے گا۔

انتخابی مہم کے دوران نازیبا زبان کے استعمال پر پرویز خٹک کی قوم سے معافی

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما اور سابق وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے انتخابی مہم کے دوران نازیبا الفاظ استعمال کرنے پر قوم سے معافی مانگ لی۔

پرویز خٹک کی جانب سے قوم سے معافی مانگنے کی ویڈیو سامنے آئی جس میں انہوں نے قوم کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ’ان کے اس بیان کا مقصد کسی کی دل آزاری کرنا نہیں بلکہ معاشرے میں موجود خرابیوں کی نشاندہی کرنا تھا، جس میں ووٹ کی خرید و فروخت بھی شامل ہے‘۔

انہوں نے مزید کہا کہ ’اگر میرے ان الفاظ سے کسی کی دل آزاری ہوئی ہو تو میں معذرت خواہ ہوں‘۔

خیال رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور خیبر پختونخوا کے سابق وزیر اعلیٰ پرویز خٹک کی ایک ویڈیو، انتخابات سے قبل سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھی جس میں انہوں نے انتخابی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے پشتو زبان میں پاکستان پیپلز پارٹی کو نامناسب انداز میں تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔

پرویز خٹک کے اس بیان پر صحافیوں، عام عوام اور دیگر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد نے ناراضگی کا اظہار کیا۔

معروف صحافی گل بخاری نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پرویز خٹک کی ویڈیو اور اس کے ہمراہ ان کے بیان کا اردو ترجمہ ٹویٹ کیا۔

واضح رہے کہ پرویز خٹک اس سے قبل پاکستان پیپلز پارٹی سے وابستہ رہ چکے ہیں۔

بعد ازاں الیکشن کمیشن نے پرویز خٹک کی جانب سے انتخابی مہم کے دوران ناشائستہ زبان استعمال کرنے پر از خود نوٹس لیا تھا جس پر پی ٹی آئی کے رہنما پرویز خٹک نے الیکشن کمیشن آف پاکستان سے غیر مشروط معافی طلب کی تھی۔

تاہم الیکشن کمیشن نے کیس کی سماعت 9 اگست تک ملتوی کردی تھی۔

الیکشن کمیشن کی جانب سے 9 اگست کو کیس کا فیصلہ سنائے جانے کا بھی امکان ہے۔

پنجاب کی وزارت اعلیٰ کیلیے جہانگیر ترین اور شاہ محمود قریشی گروپ میں رسہ کشی

لاہور: تحریک انصاف کے رہنماؤں شاہ محمود قریشی اور جہانگیر ترین کے مابین پنجاب کی وزارتِ اعلیٰ کی رسہ کشی زور و شور سے جاری ہے۔

تحریک انصاف کے اعلیٰ قیادت کی جانب سے تاحال پنجاب کی وزارتِ اعلیٰ کا حتمی نام کا فیصلہ نہیں ہوسکا جب کہ دوسری جانب پی ٹی آئی رہنماؤں شاہ محمود قریشی اور جہانگیر ترین کے مابین وزارتِ اعلیٰ کے لئے رسہ کشی جاری ہے اور دونوں اپنے اپنے من پسند افراد کو بطور وزیراعلیٰ دیکھنا چاہتے ہیں۔

جہانگیر ترین وزیراعلیٰ پنجاب کے منصب پر علیم خان یا سبطین خان کو دیکھنا چاہتے ہیں، تاہم علیم خان پر نیب کی جانب سے تحقیقات کے باعث ان کا متبادل سبطین خان کو رکھا گیا ہے اور جہانگیر ترین اس کے لئے بھرپور کوششیں کررہے ہیں۔ دوسری جانب شاہ محمود قریشی بھی اپنے گروپ میں سے ایسے شخص کو وزیراعلیٰ بنانا چاہتے ہیں جو عبوری مدت کے بعد یہ منصب شاہ محمود قریشی کے لئے چھوڑ دے۔

سلمان خان کی فلم ’سلطان‘ کو چین میں ریلیز کرنے کا فیصلہ

ممبئی: بالی ووڈ کے سلطان سلمان خان نے اپنی فلم ’بجرنگی بھائی جان‘ کی بھرپور کامیابی کے بعد فلم ’سلطان‘ کو بھی چین میں ریلیز کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

بالی ووڈ فلموں کے لیے بھارت کے بعد چین بھی ایک بڑی انڈسٹری بن گئی ہے جہاں مداح سماجی مسائل پر بننے والی فلموں کو بے پناہ پسند کرتے ہیں یہی وجہ ہے کہ بالی ووڈ کے مسٹرپرفیکشنسٹ عامر خان اپنی ہر فلم چین میں ضرور ریلیز کرتے ہیں جو بھارت سے زیادہ چین میں بزنس کرنے میں کامیاب رہتی ہے۔

عامر خان کی دیکھا دیکھی دیگر اداکار بھی اپنی فلمیں چین میں ریلیز کررہے ہیں اس سے قبل عرفان خان کی پاکستانی اداکارہ صبا قمر کے ساتھ فلم ’ہندی میڈیم‘ نے چین میں اچھا بزنس کیا تھا جب کہ بالی ووڈ کے سلطان سلمان خان کی فلم ’بجرنگی بھائی جان‘ مداحوں کو متاثر کرنے میں کامیاب رہی یہی وجہ ہے کہ اب سلو میاں کی ایک اور فلم ’سلطان‘ بھی 31 اگست کو چین میں ریلیز کی جارہی ہے۔

سلمان خان کے ساتھ ’سلطان‘ اور ’ٹائیگر زندہ ہے‘ جیسی بلاگ بسٹر فلمیں بنانے والے ہدایت کار علی عباس ظفر نے فلم ’سلطان‘ کی چین میں ریلیز کے حوالے سے خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس حوالے سے بہت پرجوش ہیں اور دیکھنا چاہتے ہیں کہ چین میں لوگ اس فلم کے حوالے سے کیا رد عمل دیتے ہیں چونکہ چین اب بھارتی فلموں کے لیے بہت بڑی مارکیٹ بن گئی ہے اس لیے وہ فلم کی کامیابی کے لیے بہت پر امید ہیں۔

ہدایت کار علی ظفر عباس سے جب پوچھا گیا کیا انہیں امید ہے کہ فلم ’سلطان‘ چین میں عامر خان کی فلم ’دنگل‘ کا ریکارڈ توڑنے میں کامیاب ہوجائے گی تو انہوں نے جواب دیا کہ یہ ان کا مقصد نہیں، چونکہ عامر خان چین میں بہت بڑے سپر اسٹار بن چکے ہیں اور لوگ انہیں اب جانتے ہیں لیکن سلمان خان کی یہ دوسری فلم ہے جو چین میں ریلیز ہوگی لہذا اگر یہ فلم ’بجرنگی بھائی جان‘ کے قریب بھی پہنچ گئی تو ہم اسے اپنی کامیابی تصور کریں گے۔

واضح رہے عامر خان کی اسپورٹس فلم ’دنگل‘ نے چین میں کامیابی نے نئے ریکارڈ قائم کرتے ہوئے ایک ہزار کروڑ سے زائد کا بزنس کیا تھا جب کہ ’بجرنگی بھائی جان‘ تین سو کروڑ سے زائد کا بزنس کرنے میں کامیاب رہی تھی۔

Google Analytics Alternative