Home » 2018 » September » 03

Daily Archives: September 3, 2018

اہم ہدف 100 روزہ ایجنڈے کا نفاذ ہے، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ اہم ہدف 100 روزہ ایجنڈے کا نفاذ ہے جب کہ ہم قابلیت، کفایت شعاری اور کرپشن کے خاتمے پر مکمل توجہ مرکوز رکھتے ہوئے گورننس میں انقلاب برپا کرنے کا پختہ عزم کیے ہوئے ہیں۔

اپنی ٹوئٹ میں وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ آج ملک گیر شجرکاری مہم کا آغاز کیا ہے، میں چاہتا ہوں کہ پاکستان کو سرسبز بنانے کی اس تحریک میں آپ سب میرا ساتھ دیں تاکہ ہم ماحولیاتی تغیر کا مقابلہ کرسکیں اور اپنی آئندہ نسلوں کو آلودگی کے تباہ کن اثرات سے محفوظ بنا سکیں۔

وزیراعظم کا پنجاب کابینہ کے اجلاس کے حوالے سے کہنا تھا کہ کل وزیر اعلیٰ پنجاب، ان کی کابینہ اور صوبائی بیورو کریسی سے نہایت سود مند ملاقات ہوئی، ان سب پر واضح کردیا کہ 100 روزہ ایجنڈے کا نفاذ کلیدی ہدف ہے، ہم قابلیت، کفایت شعاری اور کرپشن کے خاتمے پر مکمل توجہ مرکوز رکھتے ہوئے گورننس میں انقلاب برپا کرنے کا پختہ عزم کیے ہوئے ہیں۔

وزیراعظم نے مزید کہا کہ خیبر پختون خوا میں پولیس اصلاحات کی بنیاد ڈالنے والے سابق آئی جی ناصر درانی سے بھی ملاقات ہوئی، اب وہ اس ٹاسک فورس کی سربراہی کررہے ہیں جس نے پنجاب میں پولیس اصلاحات کا بیڑہ اٹھا رکھا ہے، میں نے ان سے کہا کہ پنجاب میں پولیس کو سیاسی اثرو رسوخ سے پاک کرنا ان کی اولین ترجیح ہونی چاہیے۔

امریکا نے امداد نہیں کولیشن سپورٹ فنڈ کی مد میں دی جانیوالی رقم روکی ہے، وزیرخارجہ

 اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ امریکا نے امداد نہیں بلکہ کولیشن سپورٹ فنڈ میں دی جانے والی رقم روکی ہے۔

امریکا کی جانب سے واجب الادا اتحادی سپورٹ فنڈ کی بندش پر وزیر خارجہ نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ یہ رقم نہ امداد تھی نہ ہے، یہ اتحادی سپورٹ فنڈ کی مد میں امریکا کی جانب سے ہماری واجب الادا رقم تھی، یہ رقم امریکا نے روکی ہے یہ کوئی نئی بات نہیں ہے، امریکا نے سابق حکومت کے دور میں ہی یہ پیسہ معطل کر رکھا تھا اس لیے یہ تاثر دینا کہ یہ کیا ہوگیا درست عمل نہیں۔

یہ کوئی امداد نہیں یہ وہ پیسہ ہے جو ہم نے خرچ کیا

وزیر خارجہ نے کہا کہ یہ کوئی امداد نہیں یہ وہ پیسہ ہے جو ہم نے خرچ کیا یہ پیسہ امن و استحکام اور دہشت گردی کے خلاف جنگ میں استعمال ہوا، یہ پیسہ امریکا کو ہمیں واپس کرنا تھا۔

5 ستمبر کو امریکی وزیر خارجہ پاکستان آئیں گے

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ امریکا کے ساتھ تعلقات بہتر کریں گے، 5 ستمبر کو امریکی وزیر خارجہ پاکستان تشریف لائیں گے ان کے سامنے اپنا نکتہ نظر پیش کریں گے، باہمی دلچسپی کے امور کو سامنے رکھتے ہوئے امریکا کے ساتھ عزت و احترام کے ساتھ تعلقات بڑھائیں گے اور امریکا کا موقف سن کر پاکستان کا موقف سامنے رکھیں گے۔

مائیک پومپیو اور وزیر اعظم کی گفتگو پر اپنے موقف پر قائم ہیں

وزیر خارجہ نے کہا کہ ہم مائیک پومپیو اور وزیر اعظم کی گفتگو کے حوالے سے اپنے موقف پر قائم ہیں، ہم نے اپنے موقف سے پسپائی اختیار نہیں کی۔

جلال آباد میں قونصل خانہ ہم نے خود بند کیا

جلال آباد میں قونصل خانہ بند کرنے کے سوال پر انہوں نے کہا کہ ہر بات کو سازش کے طور پر نہیں لینا چاہیے، اور اسے بند کرنے کا اقدام سیکیورٹی وجوہات کی بنا پر اٹھایا، ہم افغان حکام سے رابطے میں ہیں انہوں نے سیکیورٹی اقدامات کا وعدہ کیا ہے۔

وزیراعظم فرانسیسی صدر سے پیر کو بات کریں گے

فرانسیسی صدر کے فون کے سوال پر انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم مصروفیت کے باعث فرانسیسی صدر کی فون کال ریسیو نہ کرسکے، دو طرفہ بات چیت کے بعد پیر کے روز دوبارہ ٹیلی فون کال پر اتفاق ہوا ہے۔

دہشتگردی کے خاتمے کیلیے پاک فوج کی بے پناہ قربانیاں ہیں

شاہ محمود قریشی نے مزید کہا کہ دہشت گردی کے خاتمے کے لیے پاک فوج کی بے پناہ قربانیاں ہیں، وفاقی کابینہ کو جی ایچ کیو میں بہت اچھے ماحول میں بریفنگ دی گئی اور یہ ملاقات ملکی مفاد میں ہے جس میں ہمیں داخلہ و خارجہ امور اور آئندہ کی حکمت عملی پر بریف کیا گیا۔

واضح رہے کہ امریکا نے پاکستان کو دہشت گردوں کے خلاف جنگ کے لیے دی جانے والی 30 کروڑ ڈالر کی امداد منسوخ کردی ہے اور یہ فیصلہ امریکی وزیر دفاع جیمز میٹس نے کیا ہے۔

کسی کو ڈرنے کی ضرورت نہیں ہم انصاف کے لئے بیٹھے ہیں، چیف جسٹس

کراچی: چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار کا کہنا ہے کہ عوام کھل کر اپنی تکالیف کا اظہار کریں، کسی کو بھی ڈرنے کی ضرورت نہیں ہے ہم انصاف کے لیے بیٹھے ہیں۔

چیف جسٹس کی سربراہی میں سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں مختلف کیسز کی سماعت ہوئی۔ کراچی کے علاقے کورنگی کے رہائشیوں نے اپنے گھروں کو مسمار کئے جانے کے خلاف عدالت کے باہر احتجاج کیا تو چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے مظاہرین کے وفد کو بلا کر ان کے مسائل سنے۔

درخواست گزاروں کا کہنا تھا کہ  ہمارے گھروں کو مسمار کیا جا رہا ہے، کے ڈی اے والے کہتے ہیں کہ ہمارے مکان چائنا کٹنگ پرقائم ہیں، کئی شہریوں کو کے ڈی اے نے نوٹس بھی دے دیئے ہیں، اگرجگہ چائنا کٹنگ تھی تو الاٹمنٹ کیوں دی گئی؟ ہمیں انصاف دیا جائے اور ہمارے گھروں کومسمار ہونے سے بچایا جائے۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے وفد کو یقین دہانی کرائی کہ میں نے میڈیا پر آپ لوگوں کا احتجاج دیکھا، کسی کو بھی ڈرنے کی ضرورت نہیں ہے ہم انصاف کے لئے یہاں بیٹھے ہیں، میں چاہتا ہوں کہ عوام کھل کر اپنی تکالیف کا اظہار کریں، معاملے کا تفصیلی جائزہ لیں گے اور جن افراد کے گھر قانون کے مطابق ہیں انہیں مسمار نہیں ہونے دیں گے۔

چیف جسٹس نے کے ڈی اے کومزید کارروائی سے روکتے ہوئے 1 ماہ میں ریونیوبورڈ، کے ڈی اے اوردیگرمتعلقہ حکام سے ریکارڈ طلب کرلیا۔

درخت نہ لگائے تو پاکستان ریگستان بن جائے گا، وزیراعظم عمران خان

ہری پور: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ شجرکاری مہم ہماری زندگی و موت کی جنگ ہے اور اگر درخت نہ لگائے تو پاکستان ریگستان بن جائے گا۔

ہری پور میں شجر کاری مہم کے آغاز کے موقع پر میڈیا سے گفتگو میں وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ شجرکاری مہم ہماری زندگی اور موت کی جنگ ہے، شجرکاری سے ماحولیاتی آلودگی ختم ہوگی جب کہ درخت نہ لگائے تو پاکستان ریگستان بن جائے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ گلوبل وارمنگ میں پاکستان ساتویں نمبر پر ہے، ملک کو بچانے کے لیے شجر کاری مہم چلا رہے ہیں اور ہم نے 5 سال میں پورے پاکستان کو ہرا کر دینا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پورے ملک میں 10 ارب درخت اگانا ہے، شہروں، جنگلات اور خالی علاقوں میں شجرکاری مہم چلائیں گے، درخت لگانے سے بارشیں ہوں گی جب کہ اسکولوں کے نصاب تعلیم میں شجرکاری اور صفائی ستھرائی کے مضامین شامل کیے جائیں گے۔

واضح رہے کہ حکومت کی جانب سے آج سے شجرکاری مہم کا آغاز ہوگیا ہے، مہم کو پلانٹ فار پاکستان کا نام دیا گیا ہے جس کے تحت 5 سال میں 10 ارب درخت اگانے کا ہدف طے کیا گیا ہے۔

صدارتی انتخاب میں کس امیدوار کو کتنے ووٹ پڑ سکتے ہیں؟

اسلام آباد: صدارتی انتخاب کے لئے گہما گہمی عروج پرپہنچ گئی ہے جب کہ تینوں امیدوار عارف علوی، اعتزازاحسن اور مولانافضل الرحمان حمایتیں حاصل کرنے میں مصروف ہیں اوراب تک کے اعدادوشمار کے مطابق کون سا امیدوارالیکٹورل کالج کے کتنے ووٹ حاصل کرسکتا ہے؟ جانیے اس خبر میں۔

صدر مملکت کے انتخاب کے لیے الیکٹورل کالج سینٹ، قومی اسمبلی اور چاروں صوبائی اسمبلیوں پر مشتمل ہے، سینٹ، قومی اسمبلی اور بلوچستان اسمبلی کے ہر رکن کا ایک ووٹ شمار ہو گا جب کہ پنجاب، سندھ اور خیبر پختون خوا اسمبلیوں کے 65، 65 ووٹ شمار ہوں گے۔

صدر کا الیکٹورل کالج مجموعی طور پر 706 ووٹوں پر مشتمل ہوتا ہے لیکن مختلف اسمبلیوں میں نشتیں پوری نہ ہونے کی وجہ سے اس مرتبہ یہ تعداد 684 ہے۔ تینوں امیدواروں میں سب سے زیادہ ووٹ لینے والا امیدوار صدر مملکت منتخب ہو جائے گا۔

پارلیمنٹ کے ایوان بالا یعنی سینٹ میں (ن) لیگ اور اس کے اتحادیوں کے 48، تحریک انصاف اور اتحادیوں کے 25، پیپلزپارٹی کے 20 اور 11 آزاد ارکان ہیں۔

قومی اسمبلی میں تحریک انصاف اور اتحادیوں کے 176، (ن) لیگ اور اتحادیوں کے 96، پیپلزپارٹی کے 54، 4 آزاد اور 12 نشستیں خالی ہیں۔

اس طرح پارلیمنٹ میں ڈاکٹر عارف علوی کو 201، مولانا فضل الرحمان کو 144 اور اعتزاز احسن کو 74 ووٹ پڑ سکتے ہیں جب کہ 15 آزاد ارکان بھی حق رائے دہی استعمال کریں گے۔

پنجاب اسمبلی میں تحریک انصاف الائنس کے پاس 186 نشستیں یعنی 33 الیکٹورل ووٹ، (ن) لیگ کے 162 ارکان یعنی 29 الیکٹورل ووٹ، پیپلزپارٹی کے 7 ارکان ملا کر ایک الیکٹورل ووٹ بنے گا۔

سندھ اسمبلی میں پیپلزپارٹی کے 97 ارکان کی بدولت 48 الیکٹورل ووٹ جب کہ تحریک انصاف الائنس کے 66 ارکان کے 26 الیکٹورل ووٹ بنیں گے۔ (ن) لیگ کا سندھ اسمبلی میں ایک بھی الیکٹورل ووٹ نہیں۔

خیبر پختونخوا اسمبلی میں تحریک انصاف اور اتحادیوں کے 79 ارکان ملکر 42، اپوزیشن اتحاد کے پاس 27 ارکان کے 14 اور پیپلزپارٹی کے پاس 5 ارکان کے 3 الیکٹورل ووٹ ہیں۔

بلوچستان اسمبلی میں حکومتی اتحاد کے 46 اور اپوزیشن کے پاس 20 ووٹ ہیں۔ 5 نشستوں پر ابھی فیصلہ ہونا باقی ہے۔

کل ووٹوں پر نظر ڈالیں تو تحریک انصاف اور اس کے اتحادیوں کے پارلیمنٹ میں 201، پنجاب میں 33، سندھ میں 26، خیبر پختون خوا میں 42 اور بلوچستان اسمبلی میں 46 ووٹ ہیں جو مجموعی طور پر 342 ووٹ بنتے ہیں۔

(ن) لیگ اور اس کے اتحادیوں کے پارلیمنٹ میں 144، پنجاب اسمبلی میں 29، سندھ اسمبلی میں ایک بھی نہیں، خیبر پختون خوا اسمبلی میں 14 اور بلوچستان اسمبلی میں 20 الیکٹورل ووٹ ہیں، اس کے مجموعی الیکٹورل ووٹ 207 بنتے ہیں۔

پیپلزپارٹی کے پارلیمنٹ میں 74، پنجاب اسمبلی میں ایک، سندھ اسمبلی میں 48 اور خیبر پختون خوا اسمبلی میں تین الیکٹورل ووٹ مل کر 116 بنیں گے۔

پارلیمنٹ اور چاروں صوبائی اسمبلیوں میں آزاد ارکان کے 19 الیکٹورل ووٹ ہیں۔ آزاد امیدواروں کے ووٹ تقسیم ہونے کے بعد ڈاکٹر عارف علوی کو 350، مولانا فضل الرحمان کو 218 اور اعتزاز احسن کو 116 الیکٹورل ووٹ پڑ سکتے ہیں۔

واضح رہے کہ صدر مملکت ممنون حسین ملک کے بارہویں صدر ہیں، انہوں نے 9 ستمبر 2013 کو حلف لیا تھا جس کے تحت  صدر  کی آئینی مدت 8 ستمبر 2018 کو پوری ہوگی۔

’وزیراعلیٰ سندھ نے 3 ستمبر کی تعطیل کا اعلان نہیں کیا‘

سندھ حکومت نے 3 ستمبر کو عام تعطیل دیئے جانے سے متعلق افواہوں کی تردید کردی۔

ترجمان وزیراعلیٰ ہاؤس کے جاری بیان میں کہا گیا کہ وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کل (3 ستمبر) کی تعطل کا اعلان نہیں کیا۔

بیان میں مزید کہا گیا کہ سندھ حکومت کے ماتحت چلنے والے ادارے کل بروز پیر معمول کے مطابق کھلے رہیں گے۔

خیال رہے کہ سندھ بھر میں ایسی افواہیں گردش کررہی تھیں کہ صوبائی حکومت نے 3 ستمبر کو عام تعطیل کا اعلان کیا ہے۔

اس حوالے سے سوشل میڈیا پر بھی افواہیں گردش کررہی تھیں، جن میں دعویٰ کیا جارہا تھا کہ 3 ستمبر کے لیے عام تعطیل کا اعلان عبداللہ شاہ غازی کے عرس کی تقریبات کے سلسلے میں کیا گیا۔

یاد رہے کہ ایسی خبریں بھی گردش کررہی تھی کہ کراچی کے میئر وسیم اختر نے عبداللہ شاہ غازی کے عرس کے باعث 3 ستمبر کے لیے عام تعطیل کا اعلان کیا ہے اور اس حوالے سے کراچی میٹروپولیٹن کارپوریشن (کے ایم سی) کے تمام ڈپارٹمنٹ اور متعلقہ ادارے بند رہیں گے تاہم اس خبر کی تصدیق بھی نہیں ہوسکی۔

‘مولانا فضل الرحمٰن، عمران خان کا جوڑا خوش آئند ہوگا’

امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے ہیلی کاپٹر کے ایک کلومیٹر کا خرچ 55 روپے کو اچھنبے کی بات قرار دیا اور کہا کہ اگر مولانا فضل الرحمٰن صدر پاکستان منتخب ہوئے تو عمران خان اور ان کا جوڑا خوش آئند ہوگا۔

لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سراج الحق کا کہنا تھا کہ ‘مولانا فضل الرحمٰن اور عمران خان کا جوڑا اگر بن گیا تو یہ خوش آئند ہوگا’۔

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ ‘میں ہیلی کاپٹر کو مسئلہ نہیں سمجھتا بلکہ کہتا ہوں کہ ایف 16 استعمال کرلیں تو یہ کوئی بڑی بات نہیں، اصل مسئلہ یہ ہے کہ خود پی ٹی آئی نے جو وعدے کیے اور جو الفاظ ادا کیے تو ان کے وہ نعرے، وہ وعدے اور وہ الفاظ ان کے لیے ایک آئینہ بنے ہیں اور لوگ بھی ان سے پوچھتے ہیں’۔

حکومت کی جانب سے ہیلی کاپٹر کے خرچے کی باتوں کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ ‘البتہ یہ بات بہت زیادہ خوش آئند ہے کہ ایسے ہیلی کاپٹر ایجاد ہوگئے ہیں جن پر 55 روپے فی کلومیٹر خرچ آتا ہے لیکن یہ ذرا اچھنبے کی بات ہے’۔

انہوں نے کہا کہ ‘کوئی وزیراعظم موٹر میں جائے یا ہیلی کاپٹر میں جائے یہ مسئلہ نہیں ہے، مسئلہ پی ٹی آئی نے خود بنایا اور خود اعلان کیا تھا کہ ہیلی کاپٹر استعمال نہیں کریں گے اور حکومت استعمال کررہی ہے’۔

امریکا کے حوالے سے نئی حکومت کی پالیسی پر بات کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ ‘ہمارا شروع سے موقف ہے کہ امریکا کا کوئی مطالبہ نہیں ماننا چاہیے اور ان کا مطالبہ مسترد کرنا چاہیے ماضی کے حکمرانوں نے ہمیشہ ان کی ہاں میں ہاں ملا کر اپنے ملک کو نقصان پہنچایا’۔

سراج الحق نے کہا کہ ‘پرویز مشرف نے سب سے زیادہ نقصان پہنچایا، امریکا کے کہنے پر انہوں نے افغانستان میں کارروائی میں حصہ لیا اور جو پرائی جنگ تھی وہ ادھر لے آیا جس کے نتیجے میں ہمارے ہزاروں لوگ شہید، زخمی ہوئے اور آئی ڈی پیز بن گئے’۔

انہوں نے کہا کہ ‘امریکا کے ساتھ دوستی بھی اچھی نہیں ہے اور جس نے بھی دوستی کی ہے ان کو بھی نقصان پہنچا’۔

قبل ازیں علامہ اقبال ٹاﺅن لاہور میں ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا تھا کہ پاکستانی معیشت کو سود سے پاک کرنا حکومت کی آئینی ذمہ داری ہے۔

جماعت اسلامی اور متحدہ مجلس عمل (ایم ایم اے) کے سیکریٹری جنرل لیاقت بلوچ نے اپنے خطاب میں کہا تھا کہ حکومتوں سے کسی معجزاتی کارکردگی کی توقع نہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر حکومت احتساب، حکومت کی نظریاتی سمت اور آئین کے مطابق نظریاتی تعلیم کے اقدامات متعین کردے تو یہی بڑی کامیابی ہوگی۔

لیاقت بلوچ نے کہا تھا کہ سوشل میڈیا سب کی پگڑیاں اچھالتا اور کپڑے اتارتا رہا تو ملک سماجی و معاشرتی طور پر انارکی کا شکار ہوسکتا ہے۔

انھوں نے کہا کہ پوری قوم 6 ستمبر کو یوم دفاع جوش و جذبے کے ساتھ منائے گی۔

جماعت اسلامی کے سیکریٹری جنرل نے کہا تھا کہ کشمیریوں پر ظلم اور قیامت ڈھائی جارہی ہے، امریکا، بھارت اور اسرائیلی گٹھ جوڑ سے خطے کی سلامتی خطرات سے دوچار ہے۔

پولیس اہلکاروں کے قتل میں ملوث ایم کیو ایم لندن کے 2 دہشت گرد گرفتار

کراچی پولیس نے پولیس اہلکاروں کے قتل سمیت ڈکیتی و اسٹریٹ کرائمز کی متعدد وارداتوں میں ملوث متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) لندن سے تعلق رکھنے والے 2 ٹارگٹ کلرز کو گرفتار کرلیا۔

تیموریہ پولیس کے مطابق کارروائی کے دوران ایم کیو ایم لندن سے تعلق رکھنے والے 2 دہشت گردوں اویس عرف شاہ صاحب اور عابد عرف نانا کو گرفتار کرلیا۔

دونوں دہشت گردوں کے قبضے سے بھاری تعداد میں اسلحہ، چوری شدہ موٹر سائیکل اور موبائل فونز بھی برآمد کیے گئے ہیں۔

پولیس کے مطابق ملزمان نے اپنے اعترافی بیان میں 2011 سے 2015 کے دوران 5 پولیس اہلکاروں کو قتل کرنے کا انکشاف کیا اور بتایا کہ انہیں پارٹی کی جانب سے پولیس اہلکاروں کو قتل کرنے کے احکامات موصول ہوتے تھے۔

ملزمان کے خلاف انسداد دہشت گردی کی دفعات کے ساتھ ساتھ غیر قانونی اسلحہ رکھنے سمیت مختلف دفعات کے تحت مقدمات درج کیے گئے ہیں۔

ملزمان اپنی گزر بسر اور خرچ کے لیے ڈکیتیاں ڈالنے کے ساتھ ساتھ اسٹریٹ کرائمز میں بھی ملوث تھے اور اس سے قبل جیل بھی جا چکے ہیں۔

پولیس کے مطابق ملزمان کے بیان کی مدد سے ان کے ساتھیوں کی تلاش کے لیے پولیس نے کارروائی شروع کرتے ہوئے پولیس پارٹی تشکیل دے دی گئی ہے۔

Google Analytics Alternative