Home » 2018 » September » 04

Daily Archives: September 4, 2018

تحریک انصاف کے عارف علوی ملک کے 13ویں صدر منتخب

اسلام آباد: غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے ڈاکٹر عارف علوی ملک کے 13ویں صدر منتخب ہوگئے ہیں۔

سینیٹ اور قومی و صوبائی اسمبلیوں سے صدارتی انتخاب کے غیر حتمی غیر سرکاری نتائج جاری کردیئے گئے ہیں جس کے تحت پاکستان تحریک انصاف کے عارف علوی ملک کے 13ویں صدر منتخب ہوگئے ہیں۔

قومی اسمبلی و سینیٹ

صدارتی انتخاب کے لیے قومی اسمبلی اور سینیٹ میں مجموعی طور پر 430 ارکان نے ووٹ کاسٹ کئے، پی ٹی آئی کے عارف علوی نے 212 ، اپوزیشن جماعتوں کے امیدوار مولانا فضل الرحمان نے 131 جب کہ پیپلز پارٹی کے اعتزاز احسن نے 81 ووٹ حاصل کئے۔

سندھ اسمبلی

سندھ اسمبلی میں 163 میں سے 158 ارکان نے ووٹ ڈالے، پیپلز پارٹی کے اعتزازاحسن کو 39، عارف علوی کو 22 جب کہ مولانا فضل الرحمان کوایک الیکٹورل ووٹ پڑا۔

بلوچستان اسمبلی

بلوچستان اسمبلی میں 61میں سے60 ارکان نے صدارتی انتخاب میں ووٹ ڈالے، عارف علوی نے 45 جب کہ مولانا فضل الرحمان کو 15 الیکٹورل ووٹ ملے، اعتزاز احسن ایک بھی ووٹ حاصل نہیں کرپائے۔

خیبر پختونخوا اسمبلی

خیبر پختونخوا اسمبلی کے تمام 112 ارکان نے ووٹ کاسٹ کئے، صوبائی اسمبلی میں تحریک انصاف کو اکثریت حاصل ہے، جس کی وجہ سے عارف علوی کو 78، مولانا فضل الرحمان کو 26 اور اعتزاز احسن کو 5 ارکان نے ووٹ دیا۔ خیبر پختونخوا اسمبلی سے عارف علوی کو 41 ، مولانا فضل الرحمان کو 14 جب کہ اعتزاز احسن کو 3 الیکٹورل ووٹ ملے۔

پنجاب اسمبلی

پنجاب اسمبلی میں 354 میں سے 351 ارکان نے ووٹ کاسٹ کئے، جن میں 18 ووٹ مسترد ہوئے۔ عارف علوی کو 33، مولانا فضل الرحمان کو 25 جب کہ اعتزاز احسن کو ایک الیکٹورل ووٹ ملا۔

اس سے قبل صدارتی انتخاب کے لیے سینیٹ اور قومی و صوبائی اسمبلیوں میں بیک وقت پولنگ ہوئی، تحریک انصاف نے عارف علوی، پیپلز پارٹی نے اعتزاز احسن جب کہ مسلم لیگ (ن) سمیت دیگر اپوزیشن جماعتوں نے مولانا فضل الرحمان کو میدان میں اتارا تھا۔

صدارتی انتخاب کے لیے چیف الیکشن کمشنر جسٹس (ر) سردار محمد رضا ریٹرننگ آفیسر جب کہ چاروں صوبائی اسمبلیوں میں ہائی کورٹس کے چیف جسٹس صاحبان اور سینیٹ و قومی اسمبلی میں اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس نے پریزائیڈنگ آفیسر کی ذمہ داریاں سر انجام دیں۔ پولنگ کا عمل صبح 10 بجے شروع ہوا اور شام 4 بجے تک بلا تعطل جاری رہا۔

حکومت کا اسمگلنگ اور ہنڈی کی روک تھام کیلیے قوانین سخت کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد: حکومت نے اسمگلنگ اور حوالہ ہنڈی کی روک تھام کے لیے موجودہ قوانین میں ضروری ترامیم کرکے متعلقہ قوانین کو مزید موثر بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔

وزیرِ اعظم عمران خان کی زیر صدارت اسمگلنگ اور حوالہ ہنڈی کی روک تھام سے متعلق اعلیٰ سطح کا اجلاس منعقد ہوا جس میں وزیر خزانہ اسد عمر، وزیرمملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی، وزیرِ اعظم کے مشیر برائے ادارہ جاتی اصلاحات ڈاکٹر عشرت حسین و دیگر حکام نے شرکت کی۔

اجلاس میں سیکریٹری کامرس اور ایف بی آر کی جانب سے اسمگلنگ اور حوالہ ہنڈی کے ذریعے رقوم کی غیر قانونی ترسیلات کے نتیجے میں نقصانات پر بریفنگ دی گئی جس کے بعد اسمگلنگ اور حوالہ ہنڈی کی روک تھام کے لیے موجودہ قوانین میں ضروری ترامیم کرکے متعلقہ قوانین کو مزید موثر بنانے کا فیصلہ کیا گیا۔

موجودہ قوانین میں ضروری ترامیم لانے کے لیے اٹارنی جنرل کی زیر سربراہی کسٹم، اسٹیٹ بینک، ایف بی آر اور ایف آئی اے کے نمائندوں پر مشتمل کمیٹی قائم کردی گئی ہے جو آئندہ ایک ہفتے میں اپنی سفارشات وزیر اعظم کو پیش کرے گی۔

سپریم کورٹ نے پی آئی اے کے سی ای او کی تقرری کالعدم قرار دیدی

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے قومی ائیرلائن کے چیف ایگزیکٹو آفیسر مشرف رسول کی تقرری کو کالعدم قرار دے دیا۔

سپریم کورٹ میں چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے پی آئی اے نجکاری خصوصی آڈٹ کیس کی سماعت کی۔

دوران سماعت عدالت نے حکم دیا کہ مشرف رسول مطلوبہ معیار اور قابلیت پر پورا نہیں اترتے ان کی تعیناتی غیر قانونی ہے۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ گزشتہ سماعت پر یہ معاملہ کابینہ پرچھوڑا گیاتھا اور کابینہ نے موقع گنوادیا۔

جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ ابتدائی رپورٹ کے مطابق سی ای او کی تقرری قانون کے مطابق نہیں ہوئی اس تقرری کا ابھی جائزہ لے رہے ہیں۔

اس دوران پی آئی اے کے وکیل نعیم بخاری نے دلائل دیئے کہ سی ای او کی تقرری کے خلاف اسلام آباد ہائی کورٹ فیصلہ دے چکی ہے اور عدالت نے معاملہ کابینہ کو بھجوا دیا ہے۔

جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیئے کہ مشرف رسول کی تقرری میں گائیڈ لائین کی خلاف ورزی ہوئی، سردار مہتاب تقرری کے عمل میں سائل تھے، کیا مشرف رسول کا بورڈ نے انٹرویو لیا؟ ایوی ایشن کا تجربہ بھی مشرف رسول کو تقرری سے قبل نہیں تھا۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ پی آئی اے خسارے میں چل رہا ہے، ایسے اداروں میں بڑا باصلاحیت اور جید بندہ لگانا چاہیے جب کہ مشرف رسول سردار مہتاب کے پی ایس او رہ چکے ہیں۔

عدالت نے وکلا کے دلائل سننے کے بعد مشرف رسول کی بطور چیف ایگزیکٹو پی آئی اے تقرری کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئے کالعدم قرار دے دیا۔

وزیراعظم عمران خان سے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی ملاقات

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان سے پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ سے وزیراعظم آفس میں ملاقات کی۔

وزیراعظم عمران خان سے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ملاقات کی ہے۔ ملاقات وزیراعظم آفس میں ہوئی، جس میں قومی سلامتی کے امور سے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا۔

واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان اور پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کی یہ تیسری ملاقات ہے، اس سے قبل وزیراعظم نے جی ایچ کیو کا دورہ کیا تھا، جہاں وزیراعظم کو دفاع، اندرونی سلامتی اور پیشہ ورانہ امور پر بریفنگ دی گئی تھی۔

(ن) لیگ کا صدارتی انتخاب میں اعتزاز احسن کی حمایت سے انکار

لاہور: مسلم لیگ (ن) نے صدارتی انتخاب میں اعتزاز احسن کی حمایت سے صاف انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمان ہی (ن) لیگ کے امیدوار ہیں۔

پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری سے جمعیت علما اسلام کے سربراہ اور صدارتی انتخاب کے لیے مسلم لیگ (ن) اور دیگر اپوزیشن جماعتوں کے امیدوار مولانا فضل الرحمان نے ملاقات کی جس میں آصف زرداری نے فضل الرحمان سے صدارتی انتخاب سے دست بردار ہونے کی درخواست کی۔

ملاقات کے بعد فضل الرحمان نے یہ پیغام (ن) لیگ کو پہنچایا جس پر (ن) لیگ کی قیادت نے پیپلز پارٹی کی قیادت کو جواب دیتے ہوئے اعتزاز احسن کی حمایت سے انکار کردیا ہے۔

ذرائع کے مطابق (ن) لیگ نے کہا ہے کہ اعتزاز احسن کی کسی صورت حمایت نہیں کی جائے گی مولانا فضل الرحمان ہی مسلم لیگ اور اپوزیشن کے امیدوار ہیں۔

دوسری جانب پیپلز پارٹی کے رہنما فرحت اللہ بابر نے کہا ہے کہ ہم اعتزاز احسن کی نامزدگی کسی صورت واپس نہیں لیں گے۔

بھارتی ایجنسیاں خاندان کے افراد کو نشانہ بنارہی ہیں، سید صلاح الدین

کشمیری حریت رہنما سید صلاح الدین نے دعویٰ کیا ہے کہ انڈیا کے خلاف جاری آزادی کی تحریک سے انہیں دستبردار ہونے پر مجبور کرنے کے لیے بھارتی ایجنسیاں ان کے خاندان کو نشانہ بنارہی ہیں۔

بھارت کے زیر انتظام کشمیر میں مسلح جدوجہد کرنے والی تنظیم حزب المجاہدین کے سپریم کمانڈر سید صلاح الدین کا بیان اس واقعے کے بعد سامنے آیا، جب بھارتی نیشنل انویسٹی گیشن ایجنسی (این آئی اے) نے جمعرات (30 اگست) کی شب ان کے بیٹے سید شکیل احمد کو گرفتار کیا۔

سید صلاح الدین کے صاحبزادے کو فنڈنگ کیس میں ملزم نامزد کرکے سری نگر کے علاقے رام باغ میں واقع رہائش گاہ سے گرفتار کیا گیا تھا، وہ سری نگر میں بطور لیب ٹیکنیشن کام کررہے تھے۔

بعد ازاں سیکیورٹی اداروں نے شکیل احمد کو نئی دہلی میں واقع تیہار جیل میں منتقل کردیا۔

گزشتہ سال اکتوبر میں این آئی اے نے احمد کے بڑے بھائی سید شاہد یوسف کو بھی مذکورہ کیس میں گرفتار کیا تھا اور وہ تاحال تیہار جیل میں قید ہیں، وہ شعبہ زراعت کے ملازم تھے۔

صلاح الدین نے یہ واضح کیا کہ ان کے بچوں اور خاندان کے افراد سے بدلہ لے کر اور ان کی آزادی کی تحریک کو داغ دار کرکے کشمیریوں کو بھارتی غلامی سے آزاد کروانے کی ان کی جدوجہد کے عزم کو کم نہیں کیا جاسکتا۔

صلاح الدین نے بتایا کہ گزشتہ 3 دہائیوں سے وہ اپنے خاندان سے دور تھے اور پوری کشمیری قوم اس بات سے آگاہ ہے کہ جدوجہدِ آزادی کے مالیاتی معاملات میں ان کا خاندان کبھی بھی ملوث نہیں رہا۔

انہوں نے کہا کہ ’اللہ کا شکر ہے کہ میرے ہاتھ بالکل صاف ہیں لیکن بھارتی ایجنسیوں کی مرتب کردہ مہم قابل مذمت ہے‘۔

حزب المجاہدین کے چیف نے کشمیر بار ایسوسی ایشن اور بھارت کے زیرِ انتظام کشمیر کے سرگرم سماجی کارکنان سے اپیل کی کہ وہ 30 سال قبل خریدی گئی ان کے بچوں کی جائیداد سے متعلق آزادانہ اور غیر جانبدار تحقیقات کریں اور حقائق منظر عام پر لائیں۔

انہوں نے اصرار کیا کہ ’بار ایسوسی ایشن اور سول سوسائٹی کو قوم کے سامنے حقائق بیان کرنے میں اپنا کردار ادا کرنا چاہیے’۔

صلاح الدین نے اپنا مؤقف برقرار رکھتے ہوئے کہا کہ وہ لوگ جو اللہ کے احکامات کے پابند رہے اور کشمیر کی آزادی کے لیے اپنی زندگیاں وقف کردیں وہ ان دنیاوی مفادات کو جہانِ فانی کی زندگی پر فوقیت نہیں دیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ‘تاریخ پہلے ہی ایسے افراد کی حقیقت کو ثابت کرچکی ہے اور اللہ نے چاہا تو اب بھی ایسا ہی ہوگا‘۔

واضح رہے کہ گزشتہ برس جون میں امریکی محکمہ خارجہ نے سید صلاح الدین کو خصوصی طور پر نامزد عالمی دہشت گرد قرار دیتے ہوئے ان پر پابندیاں عائد کردی تھیں۔

پابندی عائد کیے جانے کے بعد کشمیر میں لائن آف کنٹرول کے دونوں جانب ٹرمپ انتظامیہ کے خلاف شدید غم و غصہ دیکھنے میں آیا تھا اور احتجاجی مظاہرے بھی کیے گئے تھے۔

حالیہ انتخابات پر لعنت بھیجتا ہوں، مشاہد اللہ خان

اسلام آباد: مسلم لیگ (ن) کے رہنما سینیٹر مشاہد اللہ خان نے کہا ہے کہ حالیہ انتخابات پر لعنت بھیجتا ہوں۔

عام انتخابات میں مبینہ دھاندلی پر سینیٹ میں تحریک التوا پر بحث ہوئی جس میں اظہار خیال کرتے ہوئے سینیٹر مشاہد اللہ نے الیکشن میں دھاندلی پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ میں حالیہ انتخابات پر لعنت بھیجتا ہوں۔

ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا نے مشاہد اللہ کو ٹوکتے ہوئے کہا کہ برائے مہربانی غیر پارلیمانی الفاظ سے اجتناب کریں۔ اس پر مشاہد اللہ خان نے کہا کہ لفظ لعنت غیر پارلیمانی نہیں بلکہ اردو کا لفظ ہے، آپ کا مسئلہ یہ ہے کہ آپ اردو کے بجائے انگلش کو زیادہ بہتر جانتے ہیں۔

مشاہد اللہ کا کہنا تھا کہ یہ عجیب الیکشن ہے جس میں 17لاکھ ووٹ مسترد کئے گئے، نتائج تبدیل کرکے کہا جاتا ہے کہ مدینہ کی ریاست بنائیں گے، انتخابات میں میڈیا پر پابندی لگائی گئی، صحافیوں کو ڈرا دھمکا کر کالم لکھوائے گئے، میڈیا کو پولنگ اسٹیشن میں جانے سے روکا گیا، گنتی کے عمل میں پولنگ ایجنٹس کو باہر نکال دیا گیا۔

مشاہد اللہ نے کہا کہ رات کے دو بجے کہا گیا آرٹی ایس سسٹم خراب ہوگیا، 8 گھنٹے تک آر ٹی ایس سسٹم ٹھیک کام کرتا رہا مگر رات 2 بجے کیا ہوا؟، حسن عسکری 5 سال تک ن لیگ کے خلاف بولتے رہے اور انہیں ہی نگراں وزیر اعلیٰ پنجاب بنادیا گیا۔

سینیٹر عثمان کاکڑ نے کہا کہ ملک میں دوبارہ صاف اور شفاف الیکشن کرائے جائیں، چیف الیکشن کمشنر فوری استعفیٰ دیں، سینیٹ کا الیکشن زر اور زور سے مسلط کیا گیا، انتخابات کے نام پر سب سے بڑی سلیکشن ہوئی۔
جاوید عباسی نے کہا کہ عام انتخابات میں بدترین دھاندلی ہوئی، نادرا نے آر ٹی ایس سسٹم جان بوجھ کر بند کیا، حکومتی رکن اعظم سواتی نے بھی اس بات کا اعتراف کیا کہ دھاندلی کی تحقیقات کے لیے پارلیمانی تحقیقاتی کمیشن تشکیل دیا جائے۔

ایل او سی پر بھارتی فوج کی گولہ باری سے بزرگ شہری زخمی

میرپور آزاد کشمیر: لائن آف کنٹرول پر بھارتی فوج کی گولہ باری سے 70 سالہ بزرگ شہری زخمی ہوگئے۔ 

بھارتی فوج نے ایک بار پھر سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے شہری آبادی کو نشانہ بنا ڈالا۔ بھارتی فوج نے  ایل او سی پر گوئی سیکٹر کے گاؤں ندھیری میں راکٹ لانچر حملہ کیا جس میں 70 سالہ بزرگ محمد صدیق شدید زخمی ہوگئے۔

زخمی محمد صدیق کو اسپتال منتقل کردیا گیا ہے جب کہ مقامی ذرائع کے مطابق راکٹ لانچر لگنے سے محمد صدیق کے دونوں بازو ضائع ہوگئے اور چہرہ بھی بری طرح متاثر ہوا۔

Google Analytics Alternative