Home » 2018 » September » 06

Daily Archives: September 6, 2018

ملک بھر میں آج یوم دفاع و شہداء پاکستان منایا جا رہا ہے

ملک بھر میں آج یوم دفاع و شہداء پاکستان بھرپور انداز میں منایا جارہا ہے۔

6 ستمبر 1965 کو بھارت نے پاکستان پر حملہ کیا تھا جس کا پاکستان نے بھرپور جواب دیتے ہوئے دشمن کے دانت کھٹے کر دیے، اسی دن کی یاد میں آج  یوم دفاع وشہداء پاکستان بھرپور انداز میں منایا جا رہا ہے۔

آج کے دن کی مناسبت سے جی ایچ کیو راولپنڈی میں خصوصی تقریب منعقد کی جائے گی جس میں وزیراعظم عمران خان بطور مہمان خصوصی شرکت کریں گے۔ قوم اپنے شہداء کو خصوصی خراج عقیدت پیش کرے گی اور ان کی قربانیاں اجاگر کی جائیں گی، شہیدوں کے ساتھ ساتھ  اُن غازیوں کو بھی  سلام پیش کیا جارہاہے جو قوم کے خواب پورے کرتے ہوئے خود ادھورے ہوگئے۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے یوم دفاع و شہداء کے موقع پر شہداء کے لواحقین کو سلام پیش کرتے ہوئے کہا کہ شہید کی جو موت ہے وہ قوم کی حیات ہے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) نے خصوصی پروموز تیار کیے ہیں جس میں شہداء جدوجہدِ آزادی کشمیر کو بھی سلام پیش کیا گیا ہے۔

یومِ دفاع کے سلسلے میں افواجِ پاکستان کئی شہروں میں ہتھیاروں کی نمائش کریں گی جب کہ ریلوے اسٹیشنز اور ائیرپورٹس سمیت نمایاں مقامات پرشہداء کی تصاویر آویزاں کی گئی ہیں۔

وزیراعظم عمران خان کا اپنے پیغام میں کہنا تھا کہ یوم دفاع صرف 6 ستمبرتک محدود نہیں بلکہ اس کی حقیقی روح سال بھر زندہ رہتی ہے، “ہمیں پیار ہے پاکستان سے”کا عنوان پوری قوم کی امنگوں اور جذبے کا ترجمان ہے۔
وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پاک فوج نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں نمایاں کامیابیاں حاصل کی ہیں، وطن کا دفاع کرنےوالے غازیوں اورشہداء کوسلام عقیدت پیش کرتے ہیں

ہماری زندگیاں پاکستان کے لئے وقف ہیں، آرمی چیف

راولپنڈی: پاک فوج کے سربراہ جنرل قمرجاوید باجوہ کا کہنا ہے کہ زندگی سے زیادہ بڑی کوئی قربانی نہیں اور ہماری جانیں قوم کے لیے وقف ہیں۔

یوم شہداء کے موقع پر پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ اپنی اہلیہ کے ہمراہ پولیس لائنز راولپنڈی میں شہید سب انسپکٹر میاں عباس کے گھر گئے، آرمی چیف نے شہید سب انسپکٹر کی اہلیہ اور بیٹے سے ملاقات کی۔

اس موقع پر آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے شہید کے گھر والوں کی قوم کی خاطر قربانی کو سراہتے ہوئے کہا کہ آپ کے والد نے ملک کے لئے جان کا نذرانہ پیش کیا، زندگی سے زیادہ بڑی کوئی قربانی نہیں ، ہماری جانیں ملک و قوم کے لیے وقف ہیں۔

آرمی چیف نے شہید سب انسپکٹر عباس اور تمام شہداء کی قوم کے لئے عظیم قربانی کو خراج عقیدت پیش کیا، اور شہید میاں عباس کے بیٹے کو مکمل تعاون کی یقین دہانی کرائی۔

 

پاک فوج نے دہشتگردی کیخلاف جنگ میں نمایاں کامیابیاں حاصل کیں، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ پاک فوج نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں نمایاں کامیابیاں حاصل کی ہیں۔

وزیراعظم عمران خان کا یوم دفاعِ پاکستان کے موقع پر اپنے پیغام میں کہنا تھا کہ یوم دفاع پاکستان ہمارے ملی اتحاد و یکجہتی کا بہترین عکاس ہے، ’’ہمیں پیار ہے پاکستان سے‘‘ کا عنوان پوری قوم کی امنگوں اور جذبے کا ترجمان ہے اور یہ جذبہ صرف 6 ستمبر تک محدود نہیں بلکہ اسی کی حقیقی روح سال بھر زندہ رہتی ہے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پاک فوج نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں نمایاں کامیابیاں حاصل کی ہیں، افواج پاکستان کی دہشت گردی کے خاتمے میں جرات کو سراہتا ہوں، ہم اپنے شہداء اور غازیوں کو سلام عقیدت پیش کرتے ہیں جنہوں نے مادرِ وطن کے دفاع کا فریضہ بخوبی سر انجام دیا جب کہ دہشت گردی کے منطقی انجام تک بھرپور جدوجہد جاری رکھیں گے۔

انکا کہنا تھا کہ پاکستان پرامن بقائے باہمی پر یقین رکھتا ہے، ہم اپنے تمام ہمسایوں سمیت پوری دنیا کے ساتھ برابری کی بنیادوں پر باہمی تعاون کو فروغ دینا چاہتے ہیں۔

وزیراعظم نے مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی بربریت پر کہا کہ عالمی طاقتیں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ظلم و تشدد اور جارحیت کی روک تھام کے لئے اپنا کردار ادا کریں، مسئلہ کشمیر کا اقوامِ متحدہ کی قرار دادوں کے مطابق حل خطے کے امن کے لئے ناگزیر ہے۔

بڑی قومیں اپنے شہدا کوکبھی نہیں بھولتیں، ترجمان پاک فوج

راولپنڈی: ڈی جی آئی ایس پی آرمیجرجنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ ہم بڑی قوم ہیں اوربڑی قومیں اپنے شہدا کوکبھی نہیں بھولتیں۔

ترجمان پاک فوج میجرجنرل آصف غفورنے اپنی ٹوئٹ میں کہا ہے کہ ہم بڑی قوم ہیں اوربڑی قومیں اپنے شہدا کوکبھی نہیں بھولتیں، آج یوم دفاع و شہدا ہے، آئیے اپنے شہدا کے گھروں پرجائیں، ان کے اہل خانہ کوسلام پیش کریں اوروطن کے لیے شہدا کی عظیم قربانیوں پر ان کا شکریہ ادا کریں۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے بھی یوم دفاع و شہدا کے موقع پرخصوصی پیغام جاری کیا ہے، جس میں انہوں نے کہا کہ شہید کی جو موت ہے وہ قوم کی حیات ہے۔

واضح رہے کہ آج ملک بھر میں یوم دفاع و شہداء جوش و جذبے سے منایا جا رہا ہے اور اس سلسلے میں مختلف تقریبات کا سلسلہ بھی جاری ہے۔

پاکستان کا دفاع ناقابل تسخیرہے، سربراہ پاک فضائیہ

اسلام آباد: ایئرچیف مارشل مجاہد انورخان کا کہنا ہے کہ افواج پاکستان ہمارے غیورعوام کی قربانی اوراتحاد کی علامت ہیں اورتمام جاں بازوں کی بہادری اوردلیری کوسلام پیش کرتے ہیں۔

پاکستان ایئرفورس کی نورخان ایئربیس پرخصوصی تقریب منعقد ہوئی، تقریب میں پاکستان ایئرفورس نے یوم دفاع یوم شہداء کے طورپرمنایا، پاکستان ایئر فورس کی جانب سے یوم دفاع کی مناسبت سے نمائش کا انعقاد کیا گیا جس میں جدید ریڈارسسٹم اورہتھیاربھی نمائش میں موجود تھے۔

خصوصی تقریب میں ایئرچیف مجاہد انورکا پیغام پڑھ کرسنایا گیا۔ جس میں انہوں نے کہا کہ افواج پاکستان ہمارے غیورعوام کی قربانی اوراتحاد کی علامت ہیں، دیگردفاعی اداروں کے ہم آہنگ ایئرفورس نے دشمن کو شکست فاش دی، تمام جاں بازوں کی بہادری اوردلیری کو سلام پیش کرتے ہیں۔

ایئرچیف نے کہا کہ پاکستان اپنے دفاع کی بھرپورصلاحیت رکھتا ہے، پیشہ وارانہ صلاحیت کامیابی کی ضامن ہوتی ہے اوراللہ کے حوصلے اورتوفیق سے دہشت گردی پر قابو پایا جب کہ پاکستان کا دفاع ناقابل تسخیرہے۔

امریکا نے کوئی ڈومور کا مطالبہ نہیں کیا، وزیرخارجہ

اسلام آباد: وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ امریکی وزیرخارجہ سے ملاقات بہت اچھے ماحول میں ہوئی اور امریکا کی جانب سے کوئی ڈومور کا مطالبہ نہیں ہوا۔

امریکی وفد سے ملاقات کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پاک امریکا تعلقات میں سرد مہری تھی لیکن آج ملاقات میں ماحول بدلا ہوا تھا اور مذاکرات میں پاکستان نے حقیقت پسندانہ موقف پیش کیا۔ انہوں نے کہا کہ میں نے پاکستان کا نقطہ نظر خودداری اور بردباری سے پیش کیا جب کہ پاکستان امریکا سے باہمی احترام اور اعتماد پر مبنی پائیدار تعلقات چاہتا ہے۔

پاک امریکا تعلقات میں تعطل ٹوٹ گیا

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ کافی عرصے بعد امریکی عہدیدارنے پاکستان کا دورہ کیا ہے، امریکی وزیرخارجہ نے واشنگٹن آنے کی دعوت دی ہے جسے قبول کرلیا ہے اور جب اقوام متحدہ کے اجلاس میں جاؤں گا توامریکی وزیرخارجہ سے ملاقات کروں گا۔ انہوں نے کہا کہ 300 ملین ڈالر روکنے کی خبر نئی نہیں تھی اور امریکا سے تعلق صرف لینے دینے کا نہیں جب کہ امریکا سے پیسوں کی نہیں اصولوں کی بات کی، آج کی ملاقات سے دوطرفہ تعلقات میں تعطل ٹوٹ گیا۔

 بلیم گیم سے کچھ حاصل نہیں ہوگا

وزیرخارجہ نے کہا کہ امریکا کے ساتھ مذاکرات کا اگلا دور واشنگٹن میں ہوگا لیکن امریکا کوکہا کہ بلیم گیم سے کچھ حاصل نہیں ہوگا، امریکا سے کئی معاملات پرسوچ مختلف ہوگی مگر بعض مشترکہ مقاصد ہیں تاہم پاکستان کا مفاد سب کوعزیز اورمقدم ہے اور  پاکستان کی قربانیوں سے کوئی غافل نہیں۔

افغان مسئلے کا کوئی فوجی حل نہیں

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ امریکا نے اپنی پالیسی کا ازسرنوجائزہ لیا ہے، امریکا چاہتا ہے پاکستان افغانستان سے متعلق بات چیت آگے بڑھانےمیں مدد دے جب کہ پاکستان افغانستان میں امن واستحکام کے فروغ کیلیے کوششیں جاری رکھے گا لیکن افغانستان کا حل فوجی نہیں بلکہ سیاسی مذاکرات میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ میرا پہلا غیر ملکی دورہ بھی افغانستان کا ہوگا۔

امریکا افغان طالبان کیساتھ مذاکرات کے لیے تیار

وزیرخارجہ نے کہا کہ آج عندیہ ملا ہے امریکا افغان طالبان کے ساتھ مذاکرات کے لیے ذہنی طورپرتیارہے، طالبان کے ساتھ مذاکرات میں امریکی محکمہ خارجہ لیڈ کرے گا جب کہ افغان امن میں پاکستان کی دلچسپی ہے کیوں کہ خطے کی ترقی اورخوشحالی افغان امن سےجڑی ہوئی ہے اور جب افغانستان کے ساتھ ملکرکام کیا ہے تودونوں ممالک کوفائدہ ہوا ہے۔

عسکری و سیاسی قیادت ایک پیج پر ہے

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ تاثردیا جاتا تھا امریکی پہلے وزیراعظم ہاؤس پھرجی ایچ کیو میں ملاقاتیں کرتے تھے لیکن آج امریکیوں کو واضح  پیغام دیا کہ ہم سب ایک پیج پرہیں، آج ملاقات میں آرمی چیف، ڈی جی آئی ایس آئی بھی موجود تھے، پاکستان کی عسکری و سیاسی قیادت ایک پیج پر ہے۔

 حکومت کی ترجیحات 

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ نئی حکومت کی ترجیح سماجی و معاشی ترقی اور عوام کی بہتری ہے، ہم ایک نئی سوچ کے ساتھ آگے بڑھنے کا ارادہ رکھتے ہیں اور ہم بھی اپنی پالیسیوں کا ازسرنو جائزہ لیں گے جب کہ پڑوسیوں کے ساتھ مثبت تعلقات رکھنا چاہتے ہیں، اس ایجنڈے کوآگے بڑھانے کیلیے ہماری خارجہ پالیسی کومعاون بننا ہوگا۔

اس سے قبل امریکی وزیر خارجہ مائک پومپیو مختصر دورے پر پاکستان پہنچے جہاں انہوں نے وفد کے ہمراہ وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی، جس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے بھی شرکت کی۔ ملاقات میں پاک امریکا تعلقات، افغانستان میں امن عمل اور پاکستان کے لیے امریکی امداد کی معطلی کے مسئلے پر بات چیت کی گئی۔ مائک پومپیو کی زیر قیادت وفد میں امریکی فوج کے جنرل جوزف ڈنفورڈ اور دیگر حکام بھی موجود تھے۔

’’ امریکا کا ہر مطالبہ پورا نہیں کرسکتے ‘‘

سفارتی ذرائع کے مطابق امریکی وزیر خارجہ مائک پومپیو نے امداد کی بحالی کے لیے ایک مرتبہ پھر ڈومور کا مطالبہ کیا، تاہم پاکستان نے دوٹوک انداز میں امریکا کا مطالبہ مسترد کرتے ہوئے واضح کردیا کہ اس کی ہر بات تسلیم نہیں کی جاسکتی۔ پاکستان نے مائک پومپیو پر زور دیا کہ پاک امریکا تعلقات میں مشترکہ مفادات کو مد نظر رکھا جائے۔

امریکا کا ہر مطالبہ پورا نہیں کرسکتے، پاکستان نے واضح کردیا

 اسلام آباد: پاکستان نے امریکا کا ڈو مور کا مطالبہ مسترد کرتے ہوئے اس پر واضح کردیا ہے کہ اس کا ہر مطالبہ پورا نہیں کیا جاسکتا۔

پاکستان کا دورہ کرنے والے امریکی وزیر خارجہ مائک پومپیو نے وفد کے ہمراہ وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی، جس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے بھی شرکت کی۔ ملاقات میں پاک امریکا تعلقات، افغانستان میں امن عمل اور پاکستان کے لیے امریکی امداد کی معطلی کے مسئلے پر بات چیت کی گئی۔ مائک پومپیو کی زیر قیادت وفد میں امریکی فوج کے جنرل جوزف ڈنفورڈ اور دیگر حکام بھی موجود تھے۔

سفارتی ذرائع کے مطابق امریکی وزیر خارجہ مائک پومپیو نے امداد کی بحالی کے لیے ایک مرتبہ پھر ڈومور کا مطالبہ کیا، تاہم پاکستان نے دوٹوک انداز میں امریکا کا مطالبہ مسترد کرتے ہوئے واضح کردیا کہ اس کی ہر بات تسلیم نہیں کی جاسکتی۔ پاکستان نے مائک پومپیو پر زور دیا کہ پاک امریکا تعلقات میں مشترکہ مفادات کو مد نظر رکھا جائے۔

وزیراعظم سے ملاقات کے بعد امریکی وزیر خارجہ بھارت روانہ ہوگئے۔ قبل ازیں مائک پومپیو دفتر خارجہ پہنچے جہاں دونوں ممالک کے وفود کے درمیان وزرائے خارجہ سطح کے مذاکرات ہوئے جس میں دو طرفہ، علاقائی اور عالمی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے باہمی اعتماد اور احترام کی بنیاد پر پاک امریکا تعلقات کو ازسرنو بحال کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے قومی مفادات کا تحفظ کرنا نئی حکومت کی اولین ترجیح ہے۔

کابینہ اجلاس؛ مدارس اور اسکولوں میں یکساں نصاب تعلیم نافذ کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد: وفاقی کابینہ نے مدارس اور اسکولوں میں یکساں نصاب تعلیم نافذ کرنے کی منظوری دے دی۔

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا۔ اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا کہ وفاقی کابینہ نے بیرون ملک سے رقوم واپس لانے کا فیصلہ کیا ہے جس کیلئے ٹاسک فورس بنائی گئی ہے اور وزیراعظم ہاؤس میں شعبہ قائم کیا گیا ہے، وفاقی کابینہ نے اپنے 80 ارب کے صوابدیدی فنڈز بھی ختم کردیے ہیں جو پارلیمنٹ کے پاس واپس چلے گئے ہیں۔

مشیر برائے احتساب اور ٹاسک فورس کے سربراہ بیرسٹر شہزاد اکبر نے کہا کہ سوئس اکاؤنٹس سے پیسہ واپس لانے کے لیے وزارت خارجہ کی اعلیٰ سطح کی ٹیم تشکیل دی جائے گی جس میں ایف بی آر کے اہلکار بھی شامل ہیں، پاکستان سے پیسہ لوٹنے والے 100 بڑے مگرمچھوں کے خلاف آپریشن پر توجہ دی جائے گی، پتہ چلایا جائے گا کہ انہوں نے پیسہ کہاں چھپایا ہے اور پھر وہاں سے پیسہ واپس لایا جائے گا۔

فواد چوہدری نے بتایا کہ تعلیم کے شعبے میں بہتری کیلئے بھی شفقت محمود کی سربراہی میں ٹاسک فورس بنائی گئی ہے جس میں ماہرین کو شامل کیا جائے گا۔ یہ ٹاسک فورس مدارس کے بچوں کیلئے بھی اقدامات کرے گی، ملک بھر میں تمام مدارس اور اسکولوں کے لیے یکساں بنیادی نصاب تعلیم کو نافذ کیا جائے گا۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ اسکولوں میں مختلف طرح کے نظام تعلیم چل رہے ہیں، کہیں او لیول ہے تو کہیں میٹرک سسٹم جب کہ مدارس کے بھی اپنے نظام چل رہے ہیں، یہ تمام سرٹیفکیٹس ختم کرکے پورے پاکستان میں ایک ہی اسکول سرٹیفکیٹ سسٹم نافذ کیا جائے، مختلف طرح کے نظام تعلیم کی وجہ سے معاشرے میں کئی طبقات بن گئے ہیں جنہیں ختم کرنا ضروری ہے۔

وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ وزیراعظم نے اسکولوں میں جسمانی سزاؤں پر مکمل پابندی کی منظوری دے دی اور صوبائی حکومتوں کے ذریعے نجی اسکولوں کی فیسوں کو مناسب سطح پر لایا جائے گا، بچوں کے بنیادی حقوق کیلئے بھی حکومت نے اقدامات کی منظوری دی ہے، زیادتی کے واقعات اور چائلڈ لیبر روکنے کے لیے اقدامات کئے جائیں گے، اسٹریٹس چائلڈز کیلئے ملک بھر میں یتیم خانے بنائے جائیں گے۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ دفتر خارجہ کو سمندرپار پاکستانیوں کے ساتھ رویہ بہتر بنانے کی ہدایت جاری کی گئی ہے، مختلف ممالک کی جیلوں میں قید 10 ہزار پاکستانیوں کی رہائی کے لیے اقدامات کیے جائیں گے، ان کی معلومات مرتب کی جائیں گی اور دفتر خارجہ کو اس سلسلے میں فعال کردار ادا کرنے کی ہدایت کی گئی ہے، ایران میں 3 ہزار پاکستانی قید ہیں جنہیں سزائے موت سنائی گئی ہے۔

فواد چوہدری نے مزید کہا کہ وزیراعظم نے تربیلا توسیعی منصوبے میں 25 ارب روپے کے نقصان کی تحقیقات کی منظوری دی ہے، ملک بھر میں تمام سرکاری و نجی عمارتوں میں معذوروں کے لیے خصوصی ریمپس (راستے) بنانے کا حکم دیا گیا ہے، بیرون ملک ایک ارب روپے کی خفیہ جائیداد ظاہر کرنے پر نادہندہ کو 20 فیصد یعنی 20 کروڑ روپے ملیں گے۔

Google Analytics Alternative