Home » 2018 » September » 08

Daily Archives: September 8, 2018

بیرون ملک مقیم پاکستانی ڈیم بنانے میں حکومت کی مدد کریں، وزیراعظم کی اپیل

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے بیرون ملک پاکستانیوں سے ڈیم فنڈ میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ امریکا اور یورپ میں مقیم ہر پاکستانی ایک ہزار ڈالر یا اس سے زائد رقم بھیجیں۔

قوم کے نام پیغام میں وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ دو ہفتوں سے قومی مسائل پر بریفنگ لے رہا ہوں اور میں نے وعدہ کیا تھا کہ قوم کے سامنے ملک کے تمام معاملات سامنے لے کر آؤں گا، 10 سال پہلے پاکستان پر 6 ہزار ارب قرضہ تھا اور آج 30 ہزار ارب پر پہنچ گیا ہے، گردشی قرضوں کا بھی معاملہ ہے لیکن ملک کو درپیش سب سے بڑا مسئلہ پانی کا ہے، ہمیں پانی کی قلت کا سامنا ہے، ڈیم بنانا ناگزیر ہے۔

’’ صرف 30 دن پانی ذخیرہ کرنے کی گنجائش ہے‘‘

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان کے پاس صرف 30 دن کے لیے پانی ذخیرہ کرنے کی گنجائش ہے اور آج پانی کم ہوکر فی کس 1000 کیوسک رہ گیا ہے، اگر ہم نے ابھی بھی ٹیم بنانا شروع نہیں کیے تو اپنی نسلوں کے لیے مسائل کا پہاڑ چھوڑ کر جائیں گے، ماہرین کہتے ہیں اگر ہم نے ڈیم نہ بنائے تو ملک میں خشک سالی اور قحط پڑنے کا خدشہ ہوگا۔

’’ قوم کے پیسے کی خود حفاظت کروں گا ‘‘

عمران خان نے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں سے اپیل کی کہ وہ ڈیم بنانے میں حکومت کی مدد کریں، امریکا اور یورپ میں مقیم ہر پاکستانی ایک ہزار ڈالر یا اس سے زائد رقم بھیجیں، یقین دلاتا ہوں آپ کا سارا پیسا ڈیمز کے لیے استعمال ہوگا اور قوم کے پیسے کی خود حفاظت کروں گا جب کہ ہمیں اپنے وسائل سے ہی ڈیمز بنانے ہیں کیوں کہ باہر سے کوئی قرض نہیں دے گا لہذا اوورسیز پاکستانی کسی بھی ملک میں ہیں، وہ جتنا پیسہ بھیج سکیں پاکستان بھیجیں۔

’’ پاکستان کو اس وقت ڈالرز کی ضرورت ہے ‘‘

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ بیرون ملک پاکستانی کردار ادا کریں تو 5 سال میں ڈیم بن سکتا ہے، نیلم جہلم پراجیکٹ میں بھی صرف پیسے نہ ہونے کے باعث دیر ہوئی، ہمارے زرمبادلہ ذخائر میں کمی ہے اور پاکستان کو اس وقت ڈالرز چاہیے۔

چینی وزیر خارجہ 3 روزہ دورے پر اسلام آباد پہنچ گئے

اسلام آباد: چینی وزیر خارجہ پاکستان کے تین روزہ دورے پر اسلام آباد پہنچ گئے۔

ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹرمحمد فیصل کے مطابق چینی وزیر خارجہ وینگ ژی آج 3 روزہ دورے پر اسلام آباد پہنچے ہیں، چینی وزیر خارجہ کے ہمراہ اعلیٰ سطح وفد بھی موجود ہے۔

ڈاکٹر فیصل کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی وفود کی سطح پر اپنے چینی ہم منصب سے بات چیت کریں گے جب کہ چینی وزیر خارجہ صدر مملکت، وزیرا عظم ، اسپیکر قومی اسمبلی اور پاک فوج کے سربراہ سے بھی ملاقاتیں کریں گے۔

خیال رہے کہ نئی حکومت کے اقتدار سنبھالنے کے بعد یہ کسی بھی چینی اعلیٰ شخصیت کا پہلا دورہ ہے۔ قبل ازیں ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف اور امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو بھی پاکستان کا دورہ کرچکے ہیں۔

ایمان، اتحاد اور تنظیم ہی سے ہمیں منزل مل سکتی ہے، آرمی چیف

راولپنڈی: آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ ایمان، اتحاد، تنظیم ہی سے ہمیں منزل مل سکتی ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر میجرجنرل آصف غفور نے ٹوئٹر پیغام میں لکھا کہ پاک فوج کے سپہ سالار جنرل قمر جاوید باوجوہ نے گزشتہ روز جی ایچ کیو میں منعقدہ یومِ دفاع و شہدا کی تقریب میں شرکت پر معزز مہمانوں کا شکریہ ادا کیا ہے۔

آرمی چیف نے کہا کہ یوم دفاع پر ہم نے ملک بھر میں ایک قوم کی طرح ایمان ،اتحاد اور تنظیم کا مظاہرہ کیا اور یہی جذبہ ہمیں صحیح منزل کی طرف لے جاسکتا ہے جب کہ شہداء اور ان کے لواحقین کو سلام پیش کرتا ہوں۔

آرمی چیف نے شہدا اور غازیوں کے اہل خانہ کے ساتھ دن گزارا

دریں اثنا آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے جی ایچ کیو راولپنڈی کے آڈیٹوریم میں شہدا اور غازیوں کے اہل خانہ کے ساتھ دن گزارا اور ان سے الگ الگ ملاقاتیں کیں جس میں انہوں نے لوگوں سے ان کی خیریت اور مسائل معلوم کیے۔

جنرل قمر جاوید باجوہ نے شہدا کے لواحقین کے مسائل حل کرنے کی ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ فوج اور قوم شہدا کی قربانی پر ان کا شکریہ ادا نہیں کرسکتی، پاک فوج اپنے شہدا کے خاندانوں کی دیکھ بھال جاری رکھے گی۔

ترجمان پاک فوج کے مطابق اس موقع پر شہدا کے لواحقین نے آرمی چیف اور ان کے ادارے کا شکریہ ادا کیا۔

شرجیل میمن کے خون کا نمونہ دوبارہ حاصل، پنجاب فرانزک لیبارٹری ارسال

کراچی: شرجیل میمن کے خون کے نمونے ایک بار پھر حاصل کرلیے گئے جنہیں ڈی این اے ٹیسٹ کے بعد پرانے خون کے نمونے سے میچ کیا جائے گا کہ سابقہ خون کا نمونہ شرجیل میمن کا تھا یا نہیں۔

ذرائع کے مطابق شرجیل میمن کے خون کے نمونے حاصل کرلیے گئے ہیں جنہیں کراس چیک کے لیے آغا خان اسپتال بھجوا دیا گیا ہے، شرجیل میمن کے خون کا دوبارہ ٹیسٹ ہوگا اور پرانے نمونوں سے کراس چیک کرایا جائے گا۔

ذرائع نے بتایا کہ ڈی این اے کے نمونے دو لیبارٹریز کو بھیجے گئے ہیں، ڈی این اے کا ایک نمونہ پنجاب فرانزک سائنس ایجنسی بھیجا گیا ہے جب کہ دوسرا نمونہ مقامی سطح پر ٹیسٹ کے لیے بھیجا گیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق شرجیل میمن کے خون کا ایک نمونہ پنجاب فرانزک لیبارٹری اس لیے بھیجا گیا ہے تاکہ اس کیس کی شفافیت کو جانچا جاسکے اور اس بات کا حتمی یقین کیا جاسکے کہ آغا خان اسپتال میں جس خون کے نمونے میں شراب کی مقدار نہیں پائی گئی تھی وہ نمونہ شرجیل میمن کا تھا یا نہیں۔

دنیا کا پہلا 5 بیک کیمروں والا اسمارٹ فون

آخر کسی اسمارٹ فون میں کتنے کیمرہ لینس بہت زیادہ محسوس ہوں گے؟

تو اس کا جواب لگتا ہے کہ بہت قریب ہے کیونکہ ایک نئی لیک تصویر سے اندازہ ہوتا ہے کہ نوکیا 5 بیک کیمروں والے اسمارٹ فون کو متعارف کرانے کی تیاری کررہی ہے۔

مارکیٹ میں طویل عرصے کے بعد 2016 کے آخر میں ایچ ایم ڈی گلوبل کی جانب سے نوکیا فونز متعارف کرائے جانے کا سلسلہ شروع ہوا تھا، جس کے دوران مڈرینج اینڈرائیڈ فونز، فیچر فونز اور ماضی کے مقبول فونز کو نئی شکل میں پیش کیا گیا۔

مگر اب لگتا ہے کہ یہ کمپنی پہلے حقیقی فلیگ شپ فون کو متعارف کرانے کی خواہشمند ہے اور اسی کی تصویر لیک ہوکر سامنے آئی ہے۔

۔
۔

جو اس لیے بھی حقیقی لگتی ہے کیونکہ تصویر میں یہ 5 کیمروں کا یہ سیٹ اپ زئیسسز کے نام کے ساتھ ہے جو کہ اسمارٹ فونز کیمروں کے لیے نوکیا کی شراکت دار کمپنی ہے۔

ویسے بھی 5 بیک کیمرے والے اسمارٹ فون کی تیاری کچھ زیادہ حیران کن نہیں۔

ہیواوے اپنے فون پی 20 پرو میں پہلے ہی 3 رئیر کیمرے پیش کرچکی ہے اور ایسی افواہیں ہیں کہ ایل جی تین کیمروں والا فون متعارف کرانے والی دوسری کمپنی بنے گی۔

اسی طرح سام سنگ کی جانب سے 4 بیک کیمروں والے اسمارٹ فون کی تیاری کی خبریں بھی گرم ہیں۔

ویسے یہ کہنا غلط نہیں ہوگا کہ اگر نوکیا 5 کیمروں والے فون کو متعارف کراتی ہے جو اس معاملے میں دیگر پر بازی لے جائے گی اور ہوسکتا ہے کہ اس کے فیچرز لوگوں کو سام سنگ یا ایپل کے آئی فون کو بھولنے پر مجبور کردیں۔

اس لیک تصویر میں جو فون دکھایا گیا ہے کہ اسے نوکیا 9 قرار دیا جارہا ہے، تاہم ابھی تک کمپنی نے اس بارے میں کوئی بات نہیں کی ہے جو اسے مصدقہ بناسکے۔

ایسی رپورٹس ماضی میں سامنے آچکی ہیں کہ نوکیا 9 کو اگلے سال کے آغاز پر متعارف کرایا جاسکتا ہے اور یہ اس کمپنی کا پہلا فون ہوگا جس کے ڈسپلے میں فنگرپرنٹ ریڈر نصب کیا جائے گا۔

جنوبی افریقی کھلاڑی اے بی ڈی ویلیئرز پی ایس ایل کا حصہ بن گئے

جنوبی افریقہ کے سابق کپتان اور مایہ ناز بلے باز اے بی ڈی ویلیئرز پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کا حصہ بن گئے اور ایونٹ کے چوتھے ایڈیشن میں ایکشن میں نظر آئیں گے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پاکستان سپر لیگ کے اکاؤنٹ سے کیے گئے ٹوئٹ میں اس بات کا اعلان کیا گیا کہ پی ایس ایل سیزن 4 میں جنوبی افریقی کھلاڑی بھی شامل ہوں گے۔

اس حوالے سے ٹوئٹ میں اے بی ڈی ویلیئرز نے ویڈیو پیغام میں کہا کہ پی ایس ایل دنیا بھر کے بڑے ٹی20 ٹورنامنٹ میں سے ایک ہے اور یہ پاکستانیوں کے لیے تفریح کا ایک بہترین ذریعہ ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس سے قبل میں نے پی ایس ایل کے میچ دیکھیں ہیں لیکن 2019 مختلف ہوگا اور میں خود پاکستان سپر لیگ کے سیزن 4 کا حصہ ہوں گا۔

دوسری جانب پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین احسان مانی نے بھی اے بی ڈی ویلیئرز کی پی ایس ایل میں شرکت کو خوش آئند قرار دیا۔

انہوں نے کہا کہ پی ایس ایل میں اے بی ڈویلیئرز کا آنا باعث فخر ہے اور جنوبی افریقی کھلاڑی کے آنے سے نوجوان کھلاڑیوں کو سیکھنے کا موقع ملے گا۔

خیال رہے کہ اس سے قبل پاکستان سپر لیگ کے 3 سیزن کھیلے جاچکے ہیں، جس میں جنوبی افریقی کھلاڑی اے بی ڈی ویلیئرز شامل نہیں تھے۔

114 ٹیسٹ میچز، 228 ایک روزہ میچز اور 78 ٹی20 میچز میں جنوبی افریقہ کی نمائندگی کا اعزاز حاصل کرنے والے ڈی ویلیئرز نے رواں سال مئی میں اچانک ریٹائرمنٹ کا اعلان کر کے سب سے کو حیران کردیا تھا۔

سابق جنوبی افریقی کپتان کا کہنا تھا کہ ’میں نے یہ تلخ فیصلہ لینے کے لیے کافی وقت لیا اور اس کے بارے میں کافی دنوں تک سوچا، تاہم میں اب کرکٹ سے ریٹائرمنٹ لینا چاہوں گا، جبکہ میں ابھی بھی بہتر کھیل پیش کر رہا ہوں۔

البتہ انہوں نے یہ واضح کیا تھا کہ وہ کلب کرکٹ اور ڈومیسٹک کرکٹ کھیلتے رہیں گے۔

واضح رہے کہ اے بی ڈی ویلیئرز کے پاس ایک روزہ کرکٹ میں تیز ترین سینچری اور نصف سنچری بنانے کا اعزاز ہے اور یہ کارنامہ انہوں نے جوہانسبرگ میں ویسٹ انڈیز کے خلاف جنوری 2015 میں انجام دیا تھا۔

جمہوری اداروں کی مضبوطی آئین و قانون کی بالادستی کا عزم

adaria

وزیراعظم عمران خان نے جی ایچ کیو میں منعقدہ یوم دفاع کی مرکزی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان ہر کسی کی جنگ میں نہیں پڑے گا اور ملکی خارجہ پالیسی بھی صرف عوام کی بہتری کیلئے ہوگی، سول ملٹری تعلقات میں کوئی مسئلہ نہیں ہے، ہم سب کا ایک مشترکہ مقصد ہے کہ مل کر اس ملک کو آگے لے کر جانا ہے، میرا جینا مرنا اس ملک کیلئے ہے ، یہ ملک اٹھے گا اور ایک عظیم قوم بنے گا، قومیں جنگ سے نہیں اداروں کے بگاڑ سے تباہ ہوتی ہیں، پسے ہوئے طبقات کو برابری کے حقوق ملیں گے تو ملک ترقی کرے گا، ہم اداروں کو مضبوط بنائیں گے۔ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں شرکت کے خلاف تھا لیکن جس طرح سے پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں کامیابیاں حاصل کیں دنیا میں کسی بھی فوج نے اس طرح کی کامیابیاں حاصل نہیں کیں۔ملک میں اس وقت ایک ادارہ ہے جو کام کر رہا ہے، فوج ایسا ادارہ ہے جہاں میرٹ کا نظام ہے، ہمیں اپنے ادارے مضبوط کرنے ہیں کیونکہ سیاسی مداخلت سے ادارے تباہ ہو جاتے ہیں۔وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان ایسا ملک ہے جو اسلام کے نام پر قائم ہوا تھا لیکن آج قوم مسائل میں گھری ہوئی ہے اور ملک قرضوں میں ڈوبا ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ ملک اٹھے گا اور ایک عظیم قوم بنے گی، عظیم قوم اس وقت بنے گی جب ایک چھابڑی والا، ایک مزدور، ایک سپاہی اور سب یہ سمجھیں گے کہ میں تو محنت کر رہا ہوں لیکن میرا بچہ جب سرکاری اسکول سے نکلے گا تو وہ ڈاکٹر اور انجینئر بھی بن سکتا ہے۔جب کمزور طبقہ یہ سمجھے گا کہ انہیں انصاف ملے گا تو قوم اوپر اٹھے گی۔ جب کوئی قوم متحد ہوتی ہے تو اعلی مقام حاصل کرتی ہے، میرا جینا مرنا اس ملک کے لیے ہے، یہ ملک اوپر جائے گا تو میں اوپر جاؤں گا اور یہ ملک نیچے جائے گا تو میں بھی نیچے جاؤں گا۔عمران خان نے قوم کے شہدا کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ اللہ رب العزت نے انبیا کے بعد سب سے زیادہ نعمتیں اور درجہ شہیدوں کو دیا ہے جبکہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہاکہ ہم دفاع پاکستان کیلئے سب یکجان ہیں، ملکی ترقی کیلئے جمہوریت کا تسلسل بہت ضروری ہے، جمہوریت اداروں کی مضبوطی کے بغیر پنپ نہیں سکتی۔ شہیدوں کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی، پاکستان کو امن کا گہوارہ بنائیں گے، وطن کیلئے اپنی جان قربان کرنے سے زیادہ عظیم کوئی قربانی نہیں، اب ہماری جنگ بھوک و افلاس اور ناخواندگی کیخلاف ہوگی۔آج کا دن شہدا پاکستان سے یکجہتی کا دن ہے۔ دفاع پاکستان کے لیے ہم یک جان ہیں، 6 سمتبر ملکی تاریخ کا اہم دن ہے، چھ ستمبر 1965 کو مکار دشمن کے دانت کھٹے کیے۔1965 اور 1971 کی جنگ سے ہم نے بہت کچھ سیکھا ہے، ہماری افواج اور قوم نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قربانیاں دی ہیں، ہمارے گھروں، اسکولوں، ملکی قائدین پر حملے کیے گئے، ہمیں اندر سے کمزور کرنے کی کوشش کی گئی۔آرمی چیف نے کہا کہ دہشت گردی کے ناسور کا مل کرمقابلہ کیا، دہشت گردی کے خلاف جنگ میں 70 ہزار سے زائد پاکستانی شہید اور زخمی ہوئے، زندہ قومیں اپنے شہدا کو نہیں بھولتیں۔ لہو جوسرحد پر بہہ رہا ہے ہم اس لہو کا حساب لیں گے، دو دہائیوں میں بہت مشکل دور سے گذرے ہیں، جنگ ابھی جاری ہے۔ ملکی یکجہتی، استحکام اور ترقی کیلئے جمہوریت کا تسلسل ضروری ہے،جمہوریت جمہوری رویوں، آئین و قانون کی بالادستی اور اداروں کی مضبوطی کے بغیر پنپ نہیں سکتی۔پاک فوج کے سربراہ نے کہا کہ پچھلی دو دہائیوں میں جنگ کی ساخت اور کردار بدل گئے، شہدا کو بھولنے والی قومیں مٹ جایا کرتی ہیں، شہدا نے اپنا آج قوم کے بہتر کل کی خاطر قربان کیا،شہدا کا خون رائیگاں نہیں جائے گا۔آرمی چیف نے کہا کہ پچھلی دو دہائیوں میں بہت قربانیاں دی ہیں،کام ابھی ختم نہیں ہوا، جنگ ابھی جاری ہے۔ سیاسی و عسکری قیادت نے جس عزم کا اعادہ کیا ہے وہ اس امر کا آئینہ دار ہے کہ ملک کی سیاسی وعسکری قیادت میں کوئی تناؤ نہیں ہے ۔ یہ درست ہے کہ جمہوری اداروں کی مضبوطی آئین و قانون کی بالادستی اور جمہوری رویے کے بغیر پنپ نہیں سکتی۔ جنگ ستمبر پاکستانی قوم کیلئے لازوال استقلال کا استعارہ ہے، دنیا میں وہی قومیں ترقی کرتی ہیں جو اپنے شہداء کی قربانیوں کو یاد رکھتی ہیں، یوم دفاع ملکی تاریخ میں سنگ میل کی حیثیت رکھتا ہے، 6ستمبر پوری قوم مسلح افواج کے ساتھ شانہ بشانہ سیسہ پلائی دیوار بن گئی اور دشمن کے دانت کھٹے کردکھائے۔ زندہ قوموں کا یہی شیواہوتا ہے کہ وہ وطن کیلئے اپنا تن من دھن قربان کردیتی ہیں۔یوم دفاع مسلح افواج کی ملک و قوم کیلئے بہادری کے عظیم کارناموں کی یاد دلاتا ہے۔ سیاسی و عسکری قیادت نے جس عزم کا اظہار کیا ہے وہ قوم کی امنگوں کا ترجمان ہے۔

جعلی اکاؤنٹس کیس، جے آئی ٹی تشکیل
سپریم کورٹ آف پاکستان نے جعلی بینک اکاؤنٹس کے ذریعے مبینہ منی لانڈرنگ ازخود نوٹس کیس میں 6رکنی جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم تشکیل دیدی ہے،کمشنرکارپوریٹ ٹیکس آفس عمران لطیف منہاس ، ایف آئی اے کے ایڈیشنل ڈائریکٹرجنرل احسن صادق،ڈائریکٹرنیب نعمان اسلم،ایس ای سی پی کے ڈائریکٹرمحمدافضل،آئی ایس آئی کے بریگیڈیرشاہد پرویزاور ایف بی آر کے ٹیکس کمشنر عمران لطیف جے آئی ٹی میں شامل ہیں۔سپریم کورٹ کی جانب سے جاری کئے گئے حکم نامے کے مطابق جے آئی ٹی کوایف آئی اے ایکٹ، اینٹی کرپشن قوانین کے تحت اختیارات حاصل ہوں گے،جے آئی ٹی کوضابطہ فوجدرای،نیب آرڈیننس کے تحت اختیارات حاصل ہونگے،جے آئی ٹی اپنی سہولت کے مطابق سیکرٹریٹ تشکیل دیگی،جے آئی ٹی کاکوئی رکن،نہ ہی ایف آئی اے تحقیقات سے متعلق پریس ریلیزیااطلاع جاری کریگا،جے آئی ٹی15 روزبعدپیش رفت رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرائیگی۔سپریم کورٹ نے رینجرزکوجے آئی ٹی ارکان کوسیکیورٹی فراہم کرنیکاحکم جاری کرتے ہوئے کہاکہ جے آئی ٹی کے تمام افسران کی سکیورٹی کو سخت کر دیں ،سکیورٹی فراہم کرنے کا مقصد تحقیقات کو شفاف اور موثر بنانا ہے،ملک کے تمام انتظامی ادارے جے آئی ٹی کی معاونت کے پابندہوں گے،جے آئی ٹی جعلی بینک اکانٹس کا تفصیلی جائزہ لیگی،جے آئی ٹی سراغ لگائیگی کہ سچائی کیا ہے، جے آئی ٹی جعلی بینک اکانٹس میں ملوث افراد کیخلاف شہادتیں اکٹھی کریگی،جعلی بینک اکاونٹس میں جے آئی ٹی کی تشکیل ناگزیرہے، تحقیقات پراثراندازہونے،رکاوٹ ڈالنے یادباکی کوشش ہوئی تودرخواست کادوبارہ جائزہ لیں گے ۔سپریم کورٹ نے ایف آئی اے کی درخواست پرجے آئی ٹی کی تشکیل کاحکم دیاتھا جبکہ سپریم کورٹ نے تحقیقات کواسلام آبادمنتقل کرنے کی ڈی جی ایف آئی اے کی استدعا مستردکردی۔جے آئی ٹی کو چاہیے کہ وہ عدالت عظمیٰ کے حکم کے مطابق جعلی اکاؤنٹس کی تحقیقات کو صاف و شفاف طریقے سے پایہ تکمیل تک پہنچائے تاکہ مبینہ منی لانڈرنگ کے مرتکب عناصر کیخلاف قانون کے مطابق کارروائی آگے بڑھ پائے۔

سلمان خان نے فلموں میں ولن نہ بننے کی وجہ بتادی

ممبئی: بالی ووڈ سلطان سلمان خان نے فلموں میں ولن کا کردار نہ کرنے کی وجہ بتادی۔

بالی ووڈ کے دبنگ اداکار سلمان خان نے 1988 میں فلم ’بیوی ہو تو ایسی‘ سے اپنے کیرئر کا آغاز کیا اور پھر ’میں نے پیار کیا‘ ، ’کرن ارجن‘، ’جڑواں‘، ’بیوی نمبر ون‘، ’تیرے نام‘، ’وانٹڈ‘، ’دبنگ‘، ’کک‘ اور ’ٹائیگر زندہ ہے‘ سمیت متعدد کامیڈی اور ایکشن فلمیں کیں لیکن اپنے 30 سالہ کیریئر میں انہوں نے کبھی بھی ولن کا کردار ادا نہیں کیا اور اب انہوں نے اس کی وجہ بھی بتادی ہے۔

ایک انٹریو فلموں میں ولن کا کردار سے متعلق پوچھے گئے سوال پر سلو میاں کا کہنا تھا کہ میں ولن نہیں بن سکتا کیوں کہ اگر میں نے وہ کردار اچھے سے کرلیا اور وہ کردار مشہور ہوگیا تو  میرے چاہنے والے بھی ویسا ہی کریں گے اور میرے اس ولن والے کردار کو فالو کریں گے جو میں ہرگز نہیں چاہتا۔

دبنگ اداکار نے کہا کہ گوکہ میں معنی خیز فلمیں نہیں کرتا لیکن اس کے باوجود میری فلموں میں ایک پیغام ہوتا ہے، جس میں مداحوں کو برائی سے دور رہنے اور اچھائی کی طرف راغب ہونے کا کہا جاتا ہے۔

Google Analytics Alternative