Home » 2018 » September » 13

Daily Archives: September 13, 2018

آئی ایس آئی ہماری پہلی دفاعی لائن ہے، وزیراعظم

 راولپنڈی: وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ آئی ایس آئی ہماری پہلی دفاعی لائن ہے جب کہ حکومت اور عوام، مسلح افواج اور انٹیلی جنس اداروں کے ساتھ کھڑے ہیں۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے وفاقی وزراءکے ہمراہ آئی ایس آئی ہیڈکوارٹرز کا دورہ کیا، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ اور ڈائریکٹر جنرل آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل نوید مختار نے وزیراعظم کا استقبال کیا۔

وزیراعظم نے آئی ایس آئی ہیڈکوارٹرز میں یاد گار شہداء پر پھول رکھے اور فاتحہ خوانی کی جب کہ وزیراعظم کواسٹرٹیجک انٹیلی جنس اور قومی سلامتی امورپربریفنگ دی گئی، وزیراعظم نےقومی سلامتی کے لیے آئی ایس آئی کے کردارکوسراہتے ہوئے  دہشت گردی کے خلاف ادارے کی کارکردگی کی تعریف کی۔

اس موقع پر وزیراعظم کا کہنا تھا کہ آئی ایس آئی دنیاکی بہترین انٹیلی جنس ایجنسی شمارہوتی ہے،آئی ایس آئی ہماری پہلی دفاعی لائن ہے، حکومت اور عوام، مسلح افواج اور انٹیلی جنس اداروں کے ساتھ کھڑے ہیں اور ان اداروں کی بے مثال کامیابیوں کو تسلیم کرتے ہیں۔

نواز شریف، مریم اور صفدر کی پیرول پر رہائی میں 5 روز کی توسیع

لاہور: سابق وزیراعظم نواز شریف، بیٹی مریم نواز اور داماد کیپٹن (ر) صفدر کی پیرول پر رہائی میں 5 روز کی توسیع کردی گئی ہے۔

حکومت پنجاب نے نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کی پیرول پر رہائی میں 5 روز کی توسیع کی منظوری دے دی ہے۔ بیگم کلثوم نواز کی تجہیز و تدفین میں شرکت کے لیے رات گئے تینوں افراد کو اڈیالہ جیل سے 12 گھنٹے کے لیے پیرول پر رہا کیا گیا تھا۔ محکمہ داخلہ پنجاب نے آج پیرول پر رہائی کی مدت میں توسیع کی سمری وزیراعلی آفس کو ارسال کی جس کی منظوری دے دی گئی ہے۔

گزشتہ روز صدر (ن) لیگ شہباز شریف نے  نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کو  5 روز کے لیے پیرول پر رہا کرنے کی درخواست کی تھی کیونکہ میت لندن سے واپس لانے اور تدفین میں کم از کم 3 دن لگیں گے تاہم پنجاب حکومت نے ابتدائی طور پر تینوں افراد کو 12 گھنٹے کے لیے رہائی کی اجازت دی تھی جس میں اب مزید 5 روز کی توسیع کی گئی ہے۔

محکمہ داخلہ پنجاب نے جاتی امرا کے تین کمروں کو سب جیل قرار دے دیا ہے جس کی وجہ سے تینوں افراد اپنے اپنے کمروں میں محدود رہنے اور جیل قوائد کے پابند ہیں۔ تینوں کو ایک دوسرے کے کمرے میں جانے کے لیے بھی جیل حکام کی اجازت درکار ہے۔ نواز شریف اور اہل خانہ کی حفاظت یقینی بنانے کے لیے جاتی امرا کی سیکیورٹی پر بھاری نفری تعینات ہے۔

شہباز شریف کلثوم نواز کی میت وطن لائیں گے 

دوسری جانب مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف اپنی مرحومہ بھابھی کلثوم نواز کی میت وطن واپس لانے کے لیے لاہور سے قومی ایئر لائن کی پرواز پی کے 758 کے ذریعے لندن روانہ ہوگئے ہیں۔ وہ کلثوم نواز کی میت کے ہمراہ جمعہ کے روز لاہور واپس پہنچیں گے۔ شہباز شریف اور دیگر اہل خانہ میت کے ہمراہ پاکستان آئیں گے۔

حسن اور حسین نواز والدہ کی تدفین میں شرکت نہیں کریں گے

ادھر کلثوم نواز کے دونوں بیٹے حسین اور حسن نواز اپنی والدہ کی تدفین میں شرکت نہیں کرسکیں گے، عدالتوں سے اشتہاری قرار دئیے جانے کے پیش نظر شریف خاندان کی جانب سے فیصلہ کیا گیا ہے، وہ جمعرات کو لندن میں اپنی والدہ کی نماز جنازہ میں شرکت کے بعد میت کو شہباز شریف کی ہمراہ لاہور روانہ کر دیں گے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز سابق وزیر اعظم نواز شریف کی اہلیہ بیگم کلثوم نواز کا کینسر کے باعث لندن کے اسپتال میں انتقال ہوگیا تھا۔ ان کی نمازِجنازہ جمعرات کو لندن میں ریجنٹ پارک مسجد میں ادا کی جائے گی۔

شاہد کپور نے بیٹی کی خاطر فلم کی تشہیر چھوڑ دی

بالی ووڈ کے معروف اداکار شاہد کپور نے بیٹی میشا کی دیکھ بھال کی خاطر اپنی نئی آنے والی فلم ’بتی گل میٹر چالو‘ کی تشہیر ادھوری چھوڑ دی۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق بالی ووڈ کے نامور اداکار شاہد کپور اور میرا راجپوت کے گھر دو سال بعد دوسرے ننھے مہمان کی آمد ہوئی ہے جس کا نام زین کپور رکھا گیا ہے اور ایسے موقع پر اداکار زیادہ سے زیادہ وقت اپنی فیملی کو دینا چاہتے ہیں لیکن حال ہی میں ان کی نئی فلم ’ بتی گل میٹر چالو‘ کی شوٹنگ ختم ہوئی تھی اور اب اس کی تشہیر چل رہی ہے تاہم شاہد کپور نے فلم کی تشہیر ادھوری چھوڑدی۔

اداکار شاہد کپور نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنی ایک ٹوئٹ میں بتایا کہ آخری کے کچھ دن میرے لئے بہت مشکل ترین دن ہیں کیوں کہ بیٹے زین کی ابھی گھر آمد ہوئی ہے کہ بیٹی شدید بخار میں مبتلا ہے اور اسی مصروفیت کی وجہ سے فلم کی تشہیر بھی رہ چکی ہے۔

شاہد کپور نے کہا کہ فلم ’’ بتی گل میٹر چالو‘‘ کی ریلیز میں صرف 9 دن باقی ہیں لیکن والدین کی ذمہ داریاں سب سے بڑھ کر ہیں اُمید ہے کہ میں بہت جلد فلم کی تشہیری مہم دوبارہ شروع کروں گا۔

طنز و مزاح سے بھرپور فلم’’ بتی گل میٹر چالو‘‘ میں شاہد اور شردھا کپور کو ایک عام شہری کے کردار میں دکھایا گیا ہے جو ملک میں کرپٹ عناصر کے خلاف اٹھ کھڑے ہوتے ہیں جس میں یامی گوتم ایک وکیل کا کردار نبھا رہی ہیں جب کہ فلم 21 ستمبر کو سینما گھروں کی زینت بنے گی۔

حکومت کا منی بجٹ لانے کا فیصلہ

اسلام آباد: حکومت نے ایک کھرب روپے کے لگ بھگ اضافی ریونیو حاصل کرنے کے لئے منی بجٹ متعارف کروانے کا اصولی فیصلہ کیا ہے۔

وفاقی حکومت نے منی بجٹ لانے کا فیصلہ کیا ہے جس کی سمری تیار کرلی گئی ہے جو کل وفاقی کابینہ کے اجلاس میں پیش کی جائے گی، منظوری کے بعد اسے جمعہ کو قومی اسمبلی میں پیش کردیا جائے گا۔

  • وفاقی حکومت کے نظر ثانی شدہ بجٹ میں تنخواہ دار ملازمین کیلئے قابل ٹیکس آمدنی کی حد 12 لاکھ روپے سے کم کرکے 8 لاکھ روپے کرنے کا امکان ہے جب کہ ریگولیٹری ڈیوٹی کی شرح میں 5 فیصد تک اضافے سے موبائل فونز کی قیمتیں بڑھ جائیں گی۔

آٹے کی برآمد پر بھی 5 فیصد ڈیوٹی عائد کیے جانے کا امکان ہے، وفاقی ترقیاتی پروگرام میں 380 ارب روپے کی غیرمنظور شُدہ ترقیاتی اسکیمیں ختم کرنے کی تجویز شامل ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وفاقی حکومت کی جانب سے مجوزہ منی بجٹ میں سب سے زیادہ ردوبدل انکم ٹیکس کے حوالے سے کیا جارہا ہے اور اسکے علاوہ فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی و ایکسائز ڈیوٹی کے حوالے سے بھی ترامیم کے امکانات ہیں۔

ذرائع نے بتایا کہ فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے انکم ٹیکس آرڈیننس میں ترامیم سمیت دیگر ٹیکس قوانین میں ترامیم کے لئے سمری تیار کرلی ہے، مجوزہ ترامیم کے ذریعے ایک کھرب روپے سے زائد کا اضافی ریونیو حاصل کرنے کے لئے اقدامات اٹھائے جارہے ہیں تاہم کوئی نیا ٹیکس لاگو نہیں کیا جائے گا۔

مسلم لیگ (ن) کی حکومت کی جانب سے اپنے آخری بجٹ میں اٹھائے جانے والے متعدد اقدامات کو واپس کیا جارہا ہے یا اس میں ردوبدل کیا جارہا ہے۔ ذرائع کے مطابق نظر ثانی شُدہ بجٹ میں بجٹ خسارہ، جی ڈی پی سمیت دیگر اہداف پر نظر ثانی کا بھی امکان ہے۔

امام الحق اور نئے فیلڈنگ کوچ نے دبئی میں قومی ٹیم کو جوائن کرلیا

دبئی: قومی ٹیم کے بلے باز امام الحق اور نئے فیلڈنگ کوچ گرانٹ بریڈ برنٹ نے ایشیا کپ کے لیے دبئی میں قومی ٹیم کو جوائن کرلیا۔

امام الحق ویزے میں تاخیر کے باعث قومی ٹیم کے ہمراہ نہیں جاسکے تھے تاہم آج انہوں نے دبئی پہنچ کر ٹیم کو جوائن کرلیا۔

دوسری جانب قومی کرکٹ ٹیم کے نئے فیلڈنگ کوچ گرانٹ بریڈ برنٹ بھی دبئی پہنچ گئے، انہیں پی سی بی نے حال ہی میں فیلڈنگ کوچ کے عہدے پر تعینات کیا ہے۔

ایشیا کپ کے لیے پاکستان ٹیم آج تیاریوں کا آغاز کرے گی اور 16 ستمبر کو ہانگ کانگ کے خلاف میچ سے قبل بھرپور پریکٹس کی جائے گی۔

ایونٹ کا سب سے بڑا ٹاکرا پاکستان اور بھارت کے درمیان 19 ستمبر کو ہوگا۔

چین کے صوبے ہنان میں کار سوار نے گاڑی راہگیروں پر چڑھا دی، 9 افراد ہلاک

چین کے صوبہ ہنان میں کار سوار نے تیز رفتار گاڑی راہگیروں پر چڑھا دی جس کے نتیجے میں 9 افراد ہلاک اور 46 زخمی ہو گئے۔

مقامی میڈیا کے مطابق راہگیروں پر کار چڑھانے کا واقعہ ہنان کے شہر ہینگ یانگ کے بن جیانگ اسکوائر میں پیش آیا۔

مقامی میڈیا کے مطابق زخمیوں میں سے چند افراد کو تیز دھار آلے کی مدد سے زخمی کیا گیا۔

حکام کی جانب سے واقعے کو دہشت گردی یا غلطی قرار دینے سے متعلق کوئی بیان نہیں دیا گیا تاہم مقامی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ڈرائیور نے جان بوجھ کر گاڑی راہگیروں پر چڑھائی۔

چینی میڈیا کے مطابق راہگیروں پر گاڑی چڑھانے والے شخص کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

پولیس کی جانب سے گرفتار شخص کی شناخت 54 سالہ یانگ زن ین کے نام سے ظاہر کی گئی ہے جب کہ مقامی میڈیا کا کہنا ہے کہ گرفتار شخص پہلے بھی جلاؤ گھیراؤ اور منشیات کے مقدمات میں جیل کاٹ چکا ہے۔

ایف بی آر کے 9 ماتحت ادارے ٹیکس اہداف کے حصول میں ناکام

اسلام آباد: فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کے 9 ماتحت اداروں (فیلڈ فارمشنز) کی جانب سے رواں مالی سال 2018-19 کے پہلے دو ماہ کے ٹیکس اہداف کے حصول میں ناکامی کا انکشاف ہوا ہے۔

فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کی جانب سے تمام لارج ٹیکس پیئر یونٹس (ایل ٹی یوز)، ریجنل ٹیکس آفسز (آر ٹی اوز) اور کارپوریٹ ریجنل ٹیکس آفسز (سی آر ٹی اوز) کو بھجوائے جانے والے مراسلے میں کہا گیا ہے کہ رواں مالی سال 2018-19 کی پہلی سہ ماہی (جولائی تا ستمبر) کے لیے مقرر کردہ ٹیکس وصولیوں انتہائی اہمیت کا حامل ہے لہٰذا فیلڈ فارمشنز کو ہدایت کی جاتی ہے کہ 30 ستمبر کو ختم ہونے والی رواں مالی سال کی پہلی سہ ماہی کے لیے مقرر کردہ ٹیکس وصولیوں کے اہداف کے حصول کو ہر صورت یقینی بنانے کے لیے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں۔

دستاویز کے مطابق فیڈرل بورڈ آف ریونیو کی جانب سے کہا گیا ہے کہ گزشتہ مالی سال کے مقابلے میں رواں مالی سال کے پہلے دو ماہ جولائی اور اگست کے دوران حاصل ہونے والی ٹیکس وصولیوں میں اضافے (گروتھ) کی شرح معقول ہے لیکن ابھی بھی یہ بات تشویش کے ساتھ نوٹ کی گئی ہے کہ کچھ ماتحت ادارے و فیلڈ فارمشنز تفویض کردہ ماہانہ ٹیکس وصولیوں کے اہداف حاصل کرنے کے لیے مطلوبہ ریونیو گروتھ حاصل نہیں کرسکے ہیں جبکہ ایف بی آر کے 9 فیلڈ فارمشنز ایسے ہیں جو ریونیو گروتھ تو دور کی بات ہے رواں مالی سال کے پہلے دو ماہ کے دوران گزشتہ مالی سال 2017-18 کے پہلے دو ماہ کے برابر بھی ریونیو اکٹھا نہیں کر سکے ہیں۔

فیلڈ فارمشنز کی جانب سے رواں مالی سال کے پہلے دوماہ کے دوران حاصل کردہ ریونیو کے اینالسز پرمبنی الگ الگ رپورٹس پچھلے سال کے دوماہ کے برابر بھی ریونیو حاصل نہ کرسکنے والے متعلقہ 9 فیلڈ فارمشنز کو بھجوائی جارہی ہیں جن میں فیلڈ فارمشنز کی دوماہ کی ریونیو میں کمزوریوں کی نشاندہی کی گئی ہے اور ان شعبوں کی بھی نشاندہی کی گئی ہے کہ جہاں جہاں ان فیلڈ فارمشنز کا ریونیو پچھلے سال کے مقابلے میں کم ہے لہٰذا ان شعبوں میں ریونیو گروتھ بڑھائی جائے کیونکہ رواں مالی سال کی پہلی سہ ماہی کے لیے مقرر کردہ ٹیکس وصولیوں کے اہداف کا حصول انتہائی اہم ہے لہٰذا 30 ستمبر کو ختم ہونے والی رواں مالی سال کی پہلی سہ ماہی کے لیے مقرر کردہ ٹیکس وصولیوں کے اہداف کے حصول کو ہر صورت یقینی بنانے کے لیے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں۔

ایف بی آر کی جانب سے ماتحت اداروں کو لکھے جانے والے مراسلے میں کہا گیا ہے کہ فیلڈ فارمشنز کو یہ بتانے کی ضرورت نہیں ہے کہ ماہانہ اور سہ ماہی ٹیکس اہداف کے حصول لارج ٹیکس پیئر یونٹس (ایل ٹی یوز)، ریجنل ٹیکس آفسز (آر ٹی اوز) اور کارپوریٹ ریجنل ٹیکس آفسز (سی آر ٹی اوز) کی پرفارمنس ایویلیوایشن کا واحد اہم ترین معیار ہے اور جو فیلڈ فارمشنز یہ اہداف حاصل کرنے میں ناکام ہوں گے ان کی کارکردگی غیر تسلی بخش تصور کی جائے گی۔

ڈیم کی تعمیر قومی مفاد کیلئے ناگزیر

adaria

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے بھاشا اور مہمند ڈیم کی تعمیر کیلئے فنڈ اکٹھا کرنے کیخلاف اعتراضات مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ اپنی مدد آپ کے تحت فنڈ اکٹھا کرنا بھیک مانگنا نہیں ہے،پنجاب کڈنی اینڈ لیور ٹرانسپلانٹ سنٹر سے متعلقہ ازخود ونوٹس مقدمہ کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے کہا ہے کہ جو لوگ فنڈ ریزنگ کو بھیک مانگنا کہتے ہیں وہ کم ظرف ہیں انہیں شرم آنی چاہیے۔سماعت کے دوران ترقیاتی کام کرنے والے ٹھیکیدار نے ڈیم بنانے کی پیشکش کرتے ہوئے کہا کہ جو ڈیم مجھ سے بنوانا ہے اس منصوبے کی دستاویزات دیں، ڈیم کو اصل لاگت سے کم خرچ پر بناؤں گا، جس پر چیف جسٹس نے ٹھیکیدار کو ہدایت کی کہ حساب کتاب لگا کر تحریری طور پر آگاہ کریں۔ چیف جسٹس نے بجا فرمایا ہے اپنی مدد آپ کے تحت قومی فریضہ کی انجام دہی کیلئے فنڈ ریزنگ بھیک مانگنے سے تشبیہ دینا کسی لحاظ سے بھی درست قرار نہیں دی جاسکتی، ڈیم کی تعمیر ازحد ضروری ہے، قلت آب پر قابو پانے کیلئے زیادہ سے زیادہ ڈیموں کی ضرورت ہے، بھارت کئی ڈیم بنا چکا ہے جبکہ ہم ڈیموں کی تعمیر میں سست روی کا شکار رہے ہیں جس کا نتیجہ مستقبل میں آبی قلت کی صورت میں دکھائی دینے لگا ہے۔ چیف جسٹس نے ڈیم فنڈ کے بارے میں جو ریمارکس دئیے ہیں وہ بے کم و کاست ہیں ،وزیراعظم نے بھی ڈیم کی تعمیر کیلئے فنڈ ریزنگ کا اعلان کیا ہے، اندرون و بیرون ملک پاکستانی دل کھول کر ڈیم فنڈز میں چندہ جمع کرارہے ہیں جو اس امر کا آئینہ دار ہے کہ اس قومی فریضہ کی تکمیل کیلئے عوام الناس اپنا اپنا حصہ ڈال رہے ہیں، پانی زندگی کا اہم جزو ہے اور بقائے حیات کیلئے ناگزیر ہے ، جتنے زیادہ ڈیم ہونگے اتنی زیادہ خوشحالی آئے گی، مستقبل میں پانی کے بحران سے بچنے کیلئے ڈیموں کی تعمیر انتہائی ضروری ہے جس کیلئے چیف جسٹس اور وزیراعظم نے قدم اٹھا دیا ہے جس میں دل کھول کر چندہ جمع کرانا ہم سب کی ذمہ داری قرار پاتی ہے وہی قومیں ارتقاء کی جانب جایا کرتی ہیں جو قومی جذبے سے سرشار ہوتی ہیں اور اپنی مدد آپ کا جذبہ ان میں پایا جاتا ہے، پاکستانی قوم نے ہرمشکل کی گھڑی میں وطن کیلئے اپنا تن من دھن قربان کرنے کیلئے تیار ہے۔ڈیم کی تعمیر کیلئے فنڈ ریزنگ کو بھیک مانگنا قرار دینا قطعاً درست نہیں ہے جو لوگ اس کو بھیک مانگنا قرار دے رہے ہیں وہ کم ظرفی کا مظاہرہ کررہے ہیں اس ضمن میں چیف جسٹس نے جوکچھ کہا ہے بالکل درست کہا ہے۔ پڑوسی ملک بھارت ڈیم بنانے میں اپنا کوئی ثانی نہیں رکھتا ہمیں اس کی تقلید کرتے ہوئے زیادہ سے زیادہ ڈیم بنانے چاہئیں، جتنے زیادہ ڈیمز ہونگے اتنی ہی زیادہ خوشحالی آئے گی اور ملک ترقی کی جانب گامزن ہوگا، پانی ہی سے کھیتوں کی ہریالی ہے اس کے بغیر زمینیں بے آب و رنگ اور بنجر رہ جایا کرتی ہیں زندہ قوموں کا یہ شیوہ ہوا کرتا ہے کہ وہ ملک کو درپیش مسائل سے نکالنے کیلئے بھرپور کردار ادا کیا کرتی ہیں۔ قومی جذبے کے تحت ڈیموں کی تعمیر کیلئے دل کھول کر چندہ دیا جائے تاکہ یہ منصوبہ پایہ تکمیل تک پہنچ پائے۔ اسی میں بقائے حیات کا رازمضمر ہے۔

بیگم کلثوم نواز انتقال کرگئیں
سابق وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کی اہلیہ بیگم کلثوم نواز لندن میں انتقال کرگئیں، کلثوم نواز کی گزشتہ رات طبیعت ناسازگار ہوئی تو انہیں دوبارہ وینٹی لیٹر پر منتقل کیا گیا تھا، جہاں پر وہ زندگی کی بازی ہار گئیں۔کلثوم نواز ایک سال 25 دن تک زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا رہیں۔بیگم کلثوم نواز کی میت کو پاکستان لایا جائے گا اور ان کی تدفین جاتی امرا میں کی جائے گی۔ کلثوم نواز کا جسد خاکی پاکستان لانے کے بعد تدفین جمعے کو جاتی امرا میں ہوگی۔سابق وزیراعظم نواز شریف، مریم نواز اور صفدر کواڈیالہ جیل سے پے رول پر رہا کرکر دیا گیاہے تاہم ابھی انکو 12گھنٹوں کیلئے پیرول پر رہا کیا گیا جبکہ شریف خاندان کی جانب سے 5دن کیلئے پیرول پر رہائی کی درخواست دی گئی تھی لیکن صوبائی حکومت نے فی الحال نواز شریف،مریم نواز اور محمد صفدر کو 12گھنٹوں کیلئے پیرول پر رہا کرنیکی اجازت دی ،تینوں کی پیرول پررہائی جاتی امرا تک ہی محدود رکھی گئی ہے۔جیل سے رہائی کے وقت شہباز شریف انکے ہمراہ تھے۔واضح رہے کہ بیگم کلثوم نواز 17 اگست 2017 کو علاج کے لیے لندن گئی تھیں اور دوران علاج 22اگست 2017 کو انہیں گلے میں کینسرکی تشخیص کی گئی تھی جس کے بعد ان کی کئی کیمو تھراپیز ہو چکی تھیں۔صدرمملکت، وزیراعظم عمران خان،چیف جسٹس آٖ ف پاکستان جسٹس ثاقب نثار، آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ،چیئرمین نیب ،وزراء اعلیٰ ، گورنرز، وزیراطلاعات ،سابق آئی جی ملک حبیب سمیت ملک کی دیگر قیادت نے کلثوم نواز کے انتقال پردکھ کا اظہار کیا ہے۔بیگم کلثوم نواز نے نوازشریف کی غیرموجودگی میں بہادری سے پارٹی چلائی،پاکستان گروپ آف نیوز پیپر ز کے چیف ایڈیٹر اور روز نیوز کے چیئرمین ایس کے نیازی نے بھی بیگم کلثوم نواز کے انتقال پر گہرے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ن لیگ اور شریف فیملی کے ساتھ غم میں شریک ہیں،بیگم کلثوم نواز سیاسی نہیں ایک گھریلو خاتون تھی۔ بیگم کلثوم نواز کو تین بار خاتون اول رہنے کا اعزاز حاصل رہا،1950 میں کشمیری گھرانے میں پیدا ہوئیں ، 1999ء میں بیگم کلثوم نواز ن لیگ کی صفوں میں مزاحمت کی علامت بن گئیں، بدترین بحران میں انہوں نے ن لیگ کو زندہ رکھا ۔خداوند کریم ان کو جوار رحمت میں جگہ عطا فرمائے اور لواحقین کو یہ صدمہ جانکاہ برداشت کرنے کی ہمت دے آمین۔
بلاامتیاز احتساب وقت کی ضرورت
چیئرمین نیب جسٹس (ر)جاوید اقبال نے تاجروں سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ سننے میں آیا ہے کہ تاجر برادری نیب کے اقدامات سے خوش نہیں، ملک کی خاطر کام کرنے والے تاجروں کو ڈرایا نہیں جاسکتا۔ جو تاجر ٹھیک کام کررہے ہیں انہیں کوئی ہراساں نہیں کرسکتا، تاجروں کے راستے میں آنے والی ہر چیز کو ہٹائیں گے، تاجر غلطی کریں گے تو نظر انداز ہوجائے گی تاہم جرم نظرانداز نہیں ہو سکتا۔چیئرمین نیب نے کہا کہ کچھ نجی ہاسنگ سوسائٹیز کے خلاف ایکشن ضرور لیا ہے اور یہ ایکشن غربا کے منہ سے نوالا چھیننے پر لیا ہے، ہاوسنگ سوسائیٹیز کے ان مالکان کو طلب کیا جن کی طرف ماضی میں دیکھا نہیں جاسکتا تھا، نجی سوسائیٹیز کو کہا کہ پیسے دے دیں یا پلاٹ دے دیں جب کہ 85 کروڑ سے زیادہ رقم غربا کو واپس کی ہے۔کرپٹ دنیا کے کسی کونے میں بھی چلا جائے نیب پیچھا کرے گا، کوئی جتنا بھی طاقتور ہے اس کا اثر و رسوخ نیب کے دفتر کے باہر ختم ہوجاتا ہے، نیب کے دفتر کے اندر صرف قانون ہے۔اگر آپ منی لانڈرنگ کریں گے تو نیب آرام سے نہیں بیٹھا رہے گا، پاکستان 90 ارب ڈالر کا مقروض ہے، قرض کا مقصد پاکستانی عوام کو فیض یاب کرنا تھا لیکن ایسا نہیں ہوا، جب آیا تو ایک ہی منشور تھا جو کرے گا وہ بھرے گا۔ حکومت وقت اور نیب پوری کوشش کررہا ہے کہ لوٹی ہوئی دولت کو باہر سے واپس لایا جائے، نیب کا مقصد ملکی معیشت کو مضبوط کرنا ہے جب کہ ہر پاکستانی کا فرض ہے کہ ملکی مفادات کا تحفظ کرے۔ جب تک موزوں قانون سازی نہیں ہوتی کرپشن کا مکمل خاتمہ ممکن نہیں۔ کسی دور حکومت میں ایسا نہیں ہوا کہ نیب کے بازو مضبوط کیے گئے ہوں، ہر دور حکومت میں نیب کا گلہ دبانے کی کوشش کی گئی۔ کرپٹ عناصر کیخلاف چیئرمین نیب کا عزم عوامی امنگوں کا ترجمان ہے ، بلاامتیاز احتساب سے ہی کرپشن کا خاتمہ ممکن ہے۔

Google Analytics Alternative