Home » 2018 » October » 04 (page 3)

Daily Archives: October 4, 2018

کیا جسمانی وزن میں کمی کے لیے ڈائٹنگ اچھا آپشن ہے؟

جسمانی وزن کم کرنے کے لیے کھانا چھوڑ دینا یا ڈائٹنگ کے نتیجے میں مسلز کی کمزوری اور توند کی چربی بڑھنے کا خطرہ طویل المعیاد مدت میں بڑھتا ہے۔

یہ دعویٰ امریکا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا۔

جارج ٹاﺅن یونیورسٹی کی تحقیق میں بتایا گیا کہ مردوں کے مقابلے میں خواتین جسمانی وزن کو تیزی سے کم کرنے کے لیے ڈائٹنگ کرنے کا رجحان زیادہ پایا جاتا ہے، جس کے دل، گردوں اور خون کے گردشی نظام پر مختصر المدت اور طویل المدت بنیادوں پر مضر اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

اس تحقیق کے دوران چوہوں پر تجربات کے دوران محققین نے عام معمول کے مقابلے میں غذائی کیلوریز 60 فیصد کمی کے ساتھ جانوروں کو کھلائی، جس کا موازنہ انسانوں میں روزانہ 2 ہزار کیلوریز پر مشتمل غذا کو 800 کیلوریز تک لے جانے سے کیا جاسکتا ہے۔

تین دن اندر کے چوہوں پر اس غذائی کمی کا اثر دیکھنے میں آیا یعنی جسمانی وزن میں کمی ہوگئی، تاہم اس کے نتیجے میں میٹابولک عناصر اور افعال جیسے بلڈ پریشر، دل کی دھڑکن، گردوں کے افعال اور دوران خون بھی متاثر ہوئے۔

تاہم جیسے ہی معمول کی غذا بحال کی گئی تو جسمانی وزن، بلڈ پریشر اور دل کی دھڑکن بھی معمول پر آگئی۔

مگر محققین نے دریافت کیا کہ ڈائٹنگ کے خاتمے کے 3 ماہ بعد ان جانوروں کے پیٹ کے ارگرد چربی جمع ہونے کی شرح بہت زیادہ بڑھ چکی ہے۔

 

محققین کا کہنا تھا کہ ڈائٹنگ ختم کرنے کے بعد بھی بلڈ پریشر میں اضافے کا خطرہ ہوتا ہے جبکہ توند کی چربی کے ساتھ جسم میں آنے والی تبدیلیاں طویل المعیاد بنیادوں پر ڈائیٹنگ کے عمل سے گزرنے والے افراد کے لیے صحت کے لیے خطرہ ثابت ہوسکتی ہیں۔

اس تحقیق کے نتائج امریکن فزیولوجیکل سوسائٹی کے اجلاس میں پیش کیے گئے۔

سعودیہ پاکستان کو 202 ملین ڈالر امداد دے گا، 3 معاہدے طے

اسلام آباد: پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان 3معاہدے طے پا گئے، سعودی عرب پاکستان کو 202 ملین ڈالرز کی گرانٹ فراہم کریگا۔

سعودی عرب سے اعلی سطحی وفد پاکستان آیا تھا، اور انہوں نے وزیز خزانہ اسد عمر سے ملاقات کی تھی، جس میں سعودیہ اور پاکستان کے مابین تین معاہدے طے پاگئے ہیں،جس کے تحت سعودی عرب پاکستان کو 202 ملین ڈالرز کی گرانٹ فراہم کرے گا۔

یہ گرانٹ پہلے معاہدے کے تحت مالاکنڈ میں انفراسٹرکچرکی بہتری کے لیے 72 ملین ڈالر فراہم کرے گا ،جبکہ دوسرے معاہدے میں ایبٹ آباد اور مظفرآباد میں روڈ ٹرنل کی تعمیر کے لیے 6۔26 ملین ڈالر فراہم کرے گا اور تیسرے معاہدے کے مطابق سعودی عرب زلزلہ متاثرین کی بحالی کے لیے 104 ملین ڈالر کی گرانٹ ادا کرے گا۔ ان معاہدوں پر وزیرخزانہ اسد عمر اورسعودی ڈویلپمنٹ کے سربراہ نے دستخط کیے۔

نمائندہ خصوصی کے مطابق پاکستان میں تعینات سعودی سفیر نے کہا کہ سعودی عرب اور پاکستان کے درمیان متعدد معاہدے ہونے جارہے ہیں، سعودی سفیر نے پاک سعودیہ مذاکرات پر بیان دیتے ہوئے کہا کہ مستقبل قریب میں سعودی عرب اور پاکستانی حکام متعدد معاہدوں اور یادداشتوں پر دستخط کرینگے۔

سعودی سفیر کا کہنا تھا کہ سعودی وفد پاکستان میں سرمایہ کاری کے منصوبوں کیلئے کئی علاقوں کا دورہ کرے گا، وزیرتوانائی عمر ایوب، مشیر تجارت عبدالرزاق داوئود، چیئرمین پاکستان سرمایہ کاری بورڈ ہارون شریف کیساتھ مذاکرات ہوئے۔

سعودی سفیر نے کہا کہ سعودی وفد کی پاکستانی حکام کے ساتھ پاکستان میں سرمایہ کاری کے معاملے پر بات چیت کی گئی سعودی وزارت توانائی اور قدرتی وسائل کے مشیرکی سربراہی میں وفد نے بھی پاکستان کا دورہ کیا۔

سعودی وفد نے پاکستانی حکام کے ساتھ توانائی اور مائننگ کے شعبے میں سرمایہ کاری پر مذاکرات کئے، وفد میں سعودی پٹرولیم کمپنی آرام کو سعودی ایکسپورٹ ڈویلپمنٹ اتھارٹی معادن کمپنی اور اقوا پاور کمپنی کے نمائندے شامل ہیں۔

 

طالبان کیساتھ مذاکرات؛ افغانستان کی مولانا سمیع الحق سے ثالث بننے کی درخواست

اسلام آباد: افغان حکومت نے معروف عالم دین اورجمعیت علمائے اسلام (س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق سے اپیل کی ہے کہ وہ افغان طالبان سے امن بات چیت کی کوششوں میں ثالثی کریں۔

جرمن خبررساں ادارے کے مطابق افغانستان کے اعلی وفد نے جمعیت علمائے اسلام (س) کے امیرمولانا سمیع الحق سے ملاقات کی جس میں افغان صوبے ننگرہارکے سابق گورنرعطااللہ لودین، کابل حکومت کی قائم کردہ امن کمیٹی کے رکن قاسم حلیمی اورکئی دیگرنمایاں شخصیات شامل تھیں۔

ملاقات میں کابل حکومت کے وفد کی جانب سے مولانا سمیع الحق کوافغان طالبان کے مابین بات چیت کی کوششوں میں ثالثی کا کردارادا کرنے کی درخواست کی گئی، جس پرمولانا سمیع الحق نے یہ کہا کہ پہلے مرحلے میں افغان مذہبی رہنماؤں اورطالبان کے مابین ایک خفیہ ملاقات کا اہتمام ہونا چاہیے، جس میں امریکا اورپاکستان کی کوئی مداخلت نہ ہو۔

مولانا سمیع الحق نے اس وفد کے ارکان کوبتایا کہ وہ خود بھی یہ چاہتے ہیں کہ افغانستان میں لڑائی اورخونریزی ختم ہونی چاہیے جب کہ اسلام کی برتری کے ساتھ اس ملک کی آزادی بحال ہونا چاہیے۔

ریاست اتنی کمزورنہیں جتنی نظرآتی ہے، اسد عمر

اسلام آباد: وفاقی وزیرخزانہ اسد عمرنے کہا ہے کہ ریاست اتنی کمزورنہیں جتنی نظرآتی ہے اورریاست میں دم ہے کہ نان فائلرزسے پیسہ نکلواسکے۔

قومی اسمبلی میں اپوزیشن ارکان کی جانب سے تنقید کے جواب میں اظہارخیال کرتے ہوئے اسد عمرنے کہا کہ جوکام یہ 40 سال میں نہ کرسکے ہم سے پوچھتے ہیں کہ 40 دن میں کیوں نہ کیے، آج ریاست مدینہ کا ذکرکرنے والے کاش اپنی حکومت سے بھی سوال کرلیتے۔ انھوں نے معیشت کو چاروں شانے چت کردیا تھا، افسوس کی بات ہے کہ خیبرپختونخوا اوربلوچستان کولوڈشیڈنگ نے مار دیا، کہا جاتا ہے کہ وہاں کے لوگ بجلی کا بل نہیں دیتے اس لیے لوڈشیڈنگ ہے، حقیقت یہ ہے کہ آج بجلی ہوبھی تو خیبرپختونخوا اوربلوچستان تک نہیں پہنچائی جاسکتی، ٹرانسمیشن لائنزبچھاتے ہوئے کم ترقی یافتہ اور دور درازعلاقے نظر انداز کیے گئے۔

وزیرخزانہ نے کہا کہ گزشتہ دورمیں دودھ اورشہد کی نہریں بہہ رہی تھیں، گزشتہ برس دودھ اورشہد کی نہروں کے سائے میں گردشی قرضے میں 400 ارب روپے سے زائد اضافہ ہوا، صرف گیس کے شعبے میں 454 ارب روپے کا خسارہ ہے، تمام آئی پیزکہہ رہی ہیں کہ اب ہم مزید بجلی کی پیداوارنہیں دے سکتے۔ آج مجموعی طور پرگردشی قرضہ 1200 ارب تک پہنچ چکا ہے، پی آئی اے کا جہاز اڑ نہیں سکا کیوں کہ ادارے پر قرض اتنا بڑھ چکا ہے، مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے بیواؤں کی پینشن تک روکی ہوئی تھی۔

اسد عمرنے کہا کہ نان فائلرز200 سی سی سے کم کی موٹر سائیکل خرید سکے گا، اورسیز پاکستانیوں اور بیوہ کی وراثتی جائیداد کی منتقلی پر نان فائلرز کو چھوٹ دی جارہی ہے، بڑے نان فائلرز کے خلاف مہم کا کل سے آغازہوچکا ہے، بڑے بڑے نان فائلرز کے خلاف کارروائی شروع کردی گئی ہے، 169 نان فائلرز کو نوٹس جاری کیے جاچکے ہیں، صاحب ثروت کو پیغام ہے کہ ابھی بھی وقت ہے ، وہ ٹیکس نیٹ میں آجائیں، ریاست اتنی کمزورنہیں جتنی نظر آتی ہے اور ریاست میں دم ہے کہ آپ سے پیسہ نکلوا سکے۔ قوم کا پیسا قوم پرخرچ ہوگا، آئیے اور اس کا حصہ بنیں، ٹیکس ریٹرن فائل کریں ، زمین اور گاڑی خریدنے کے اہل بن جائیں۔

وفاقی وزیرنے کہا کہ شیرسکڑ کربلی کے برابررہ گیا ہے۔ اپنے ادھورے منصوبوں کا ملبہ الیکشن کمیشن پر ڈالا جاتا ہے حالانکہ الیکشن کمیشن نے نئے منصوبوں کے اعلان سے منع کیا تھا۔

کیمیا کا نوبل انعام، فرانسس ہیملٹن، جارج اسمتھ اور سر گریگوری ونٹر کے نام

مائیکرو سافٹ نے اپنے سرفیس سیریز کی نئی ڈیوائسز کرادی ہیں اور پہلی بار اس کمپنی نے نوائز کینسلنگ ہیڈفونز بھی صارفین کے لیے پیش کردیئے ہیں۔

کمپنی کی جانب سے گزشتہ شب نیویارک میں ایک ایونٹ کے دوران سرفیس پرو 6 ٹیبلیٹ، سروفیس لیپ ٹاپ 2، سرفیس اسٹوڈیو 2 (ڈیسک ٹاپ کمپیوٹر) اور ایک سرفیس ہیڈفون متعارف کرایا، جبکہ ونڈوز 10 اور آفس 365 کے بھی متعدد نئے فیچرز کا اعلان کیا۔

مائیکروسافٹ کے چیف پراڈکٹ آفیسر پانوس پنائے کا کہنا تھا کہ سرفیس پرو 6 گزشتہ ماڈل کے مقابلے میں 67 فیصد زیادہ طاقتور ہے اور اس کی قیمت 899 ڈالرز سے شروع ہوگی۔

فرفیس لیپ ٹاپ 2 کی قیمت 999 ڈالرز سے شروع ہوگی اور یہ دونوں ڈیوائسز 16 اکتوبر سے مختلف ممالک میں دستیاب ہوں گی۔

دونوں ڈیوائسز میں چند فیچرز اپ ڈیٹ اور نئے رنگوں کا اضافہ کیا گیا ہے، تاہم کوئی بڑا ری ڈیزائن یا یو ایس بی سی پورٹ کے اضافے کے خواہشمند افراد کو 2019 کا انتظار کرنا ہوگا۔

سرفیس پرو سکس میں ایٹ جنریشن انٹیل سی پی یو، 12.3 انچ ڈسپلے، ساڑھے 13 گھنٹے بیٹری لائف، ایس ایس ڈی کارڈ سے اسٹوریج کو ایک ٹی بی تک بڑھانے کی صلاحیت اور پہلی بار بلیک رنگ میں دستیابی جیسے فیچرز دیئے گئے ہیں۔

سرفیس لیپ ٹاپ 2 میں ایٹ جنریشن انٹیل سی پی یو، 13.5 انچ ٹچ ڈسپلے، گزشتہ ماڈل کے مقابلے میں 85 فیصد تیز اور انسٹنٹ آن اور ونڈوز ہیلو سپورٹ دی گئی ہے۔

مائیکرو سافٹ کا آل ان ون ڈیسک ٹاپ کمپیوٹر سرفیس اسٹوڈیو 2 کی قیمت ساڑھے 3 ہزار ڈالرز سے شروع ہوگی تاہم اس کی دستیابی کی تاریخ کا فی الحال اعلان نہیں کیا گیا۔

اس میں 28 انچ کا ٹچ ڈسپلے، 2 ٹی بی ایس ایس ڈی، سیون جنریشن انٹیل سی پی یو، ڈی سی آئی، پی تھری، آکسائیڈ ٹرانسسٹر، نیکسٹ جنریشن پاسکل گرافکس، 13.5 ملین پکسلز اور ایکس باکس وائرلیس کنٹرولر کی بلٹ ان سپورٹ دی گئی ہے۔

تاہم ایونٹ میں سب سے بڑا سرپرائز کمپنی کی جانب سے پہلی بار نوائز کینسلنگ ہیڈفونز کو متعارف کرانا تھا۔

سرفیس ہیڈفون کی قیمت 350 ڈالرز رکھی گئی ہے جو کہ پہلے امریکا میں فروخت کے لیے پیش کیے جائیں گے۔

کمپنی کے مطابق یہ ہیڈفون ونڈوز 10، آئی او ایس، اینڈرائیڈ اور میک آپریٹنگ سسٹم سے مطابقت رکھتے ہیں اور جب صارف انہیں کان سے اتارے گا تو وہ فوری طور پر موسیقی کو روک دیں گے یا کالز میوٹ کردیں گے۔

ان ہیڈفونز کو اسکائپ کو ذہن میں رکھ کر ڈیزائن کیا گیا ہے جبکہ یہ بلیوٹوتھ ، ایکٹیو نوائز کینسلنشن اور کورٹانا پر 15 گھنٹے تک کام کریں گے۔

بلیوٹوتھ بند کرکے وائر موڈ آف اور نوائز کینسلشن ایکٹیو کرنے پر ان کی زندگہ 50 گھنٹے ہوگی، جبکہ یو ایس بی سی پورٹ چارجنگ کے لیے دی گئی ہے۔

کمپنی کے مطابق یہ ہیڈفون 2 گھنٹے سے بھی کم وقت پر مکمل چارج ہوجائیں گے۔

کلبھوشن یادیو کیس: عالمی عدالت اگلے برس فروری میں سماعت کرے گی

ہیگ کی عالمی عدالت برائے انصاف (آئی سی جے) نے پاکستان میں جاسوسی کے الزام میں زیرحراست بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کا مقدمہ اگلے برس جنوری میں سماعت کے لیے مقرر کردیا۔

آئی سی جے کی جانب سے جاری پریس ریلیز کے مطابق مقدمے کی سماعت 18 فروری 2018 سے 21 فروری 2019 تک ہو گی۔

اس حوالے سے کہا گیا کہ سماعت دی ہیگ میں پیس پیلس میں ہو گی۔

واضح رہے کہ 3 مارچ 2016 کو حساس اداروں نے بلوچستان کے علاقے ماشکیل سے بھارتی جاسوس اور نیوی کے حاضر سروس افسر کلبھوشن یادیو کو گرفتار کیا تھا۔

‘را’ ایجنٹ کی گرفتاری کے چند روز بعد اس کی ویڈیو بھی سامنے لائی گئی تھی، جس میں کلبھوشن یادیو نے اعتراف کیا تھا کہ اسے 20133 میں خفیہ ایجنسی ‘را’ میں شامل کیا گیا اور وہ اس وقت بھی ہندوستانی نیوی کا حاضر سروس افسر ہے۔

آئی سی جے کی ویٹ سائٹ پر جاری شیڈول کے مطابق بھارت اور پاکستان پہلے مرحلے میں 18 اور 19 فروری کو 3، 3 گھنٹے تک دلائل دیں گے۔

دوسرے مرحلے میں 20 فروری کو بھارت ڈیڑھ گھنٹے اپنے دلائل پیش کرے گا اور 21 فروری کو پاکستان اپنا موقف پیش کرے گا۔

خیال رہے کہ پاکستان نے آئی سی جے میں رواں برس جولائی میں ’سیکنڈ کاؤنٹر میموریل‘ جمع کرایا تھا۔

پاکستان کی جانب سے درج کاؤنٹر میموریل کے بعد بھارت اور پاکستان نے تحریری بیان بھی جمع کرائے تھے۔

پاکستان کی طرف سے پیش کردہ 400 صفحات پر مشتمل دستاویزات میں کہا گیا تھا کہ بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو پر وینا کنوینشن کے قوانین کا اطلاق نہیں ہوتا جو بھارتی نیوی کا کمشنڈ افسر ہے اور خفیہ ایجنسی ’را‘ کے جاسوسی کررہا تھا جب مارچ 2016 میں اسے گرفتار کیا گیا۔

کلبھوشن یادیو کا ٹرائل فیلڈ جنرل کورٹ مارشل نے پاکستان آرمی ایکٹ 1952 کے سیکشن 59 اور سرکاری سیکرٹ ایکٹ 1923 کے سیکشن 3 کے تحت کیا تھا، جس کی توثیق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے بھی کردی تھی۔

بھارت نے 9 مئی 2017 کو عالمی عدالت انصاف میں کلبھوشن یادیو کی پھانسی کے خلاف اپیل دائر کی تھی، اور درخواست کی تھی کہ آئی سی جے پاکستان کو بھارتی جاسوس کو پھانسی دینے سے روکے۔

عالمی عدالت نے عبوری فیصلہ سناتے ہوئے پاکستان کو بھارتی دہشت گرد کو کیس کی مکمل سماعت سے قبل پھانسی دینے سے روک دیا تھا۔ دریں اثنا گزشتہ برس دسمبر میں پاکستان نے کلبھوشن کی اہلیہ اور والدہ کو اس سے ملانے کے انتطامات کیے تھے۔

یہ ملاقات پاکستان کے دفترِ خارجہ میں ہوئی جہاں کسی بھی بھارتی سفیر یا اہلکار کو کلبھوشن کے اہلِ خانہ کے ساتھ آنے کی اجازت نہیں تھی۔

مذکورہ ملاقات کے دوران کلبھوشن یادیو نے اپنی اہلیہ اور والدہ کے سامنے بھی بھارتی خفیہ ایجنسی ’را‘ کے لیے جاسوسی کا اعتراف کیا تھا، جسے سن کر دونوں خواتین پریشان ہوگئیں تھیں۔

آئی سی جے میں جاری کلبھوشن یادیو کیس میں پاکستان اور بھارت کی جانب سے 2، 2 جوابات جمع کرائے جاچکے ہیں۔

سفارتی ذرائع نے ڈان کو بتایا کہ عالمی عدالت کی جانب سے اگلے برس کے اوائل میں فیصلہ سنایا جا سکتا ہے۔

قانونی جنگ میں بھارت نے دفاعی مورچہ سنبھال لیا

دبئی: آئی سی سی تنازعات کمیٹی میں جاری قانونی جنگ میں بھارت نے دفاعی مورچہ سنبھال لیا۔

بھارتی کرکٹ بورڈ نے 2014میں ’’بگ تھری‘‘ کی حمایت حاصل کرنے کیلیے پی سی بی کو 2015سے 2023 تک 8سال میں6باہمی سیریز کھیلنے کا لالی پاپ دیا تھا،ان میں سے 4کی میزبانی پاکستان کو کرنا تھی لیکن بعد ازاں ہر بار حکومتی اجازت نہ ملنے کا جواز دے کر مسلسل انکار کیا جاتا رہا، نقصان کے ازالے کیلیے پی سی بی نے آئی سی سی کی تنازعات کمیٹی سے رجوع کرتے ہوئے 447 کروڑ روپے ہرجانے کا دعویٰ کیا تھا۔

پیر کے روز دبئی میں ہیڈ کوارٹرز میں پی سی بی کے چیف آپریٹنگ آفیسر سبحان احمد مائیکل بیلوف کی سربراہی میں کام کرنیوالی کمیٹی کے سامنے پیش ہوئے، 2014میں معاہدہ کرنیوالے سابق چیئرمین بورڈ نجم سیٹھی نے بھی تفصیلات سے آگاہ کیا۔

گزشتہ روز سماعت کے دوسرے روز بی سی سی آئی نے اپنے ’’ٹرمپ کارڈ‘‘ کے طور پر سابق وزیر خارجہ سلمان خورشید کوپیش کیا، دیگر مصروفیات کی وجہ سے ان کا بیان سب سے پہلے ریکارڈ کیا گیا۔

بھارتی بورڈ کے ایک اعلیٰ عہدیدار نے نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر بتایا کہ سلمان خورشید کی کمیٹی میں آمد پی سی بی کیلیے بڑی حیرت کا باعث تھی،وہ توقع نہیں کررہے تھے کہ ایک سابق وزیر خارجہ بھی تنازع کے حوالے سے حقیقت واضح کرنے کیلیے پیش ہوسکتا ہے۔

سلمان خورشید نے کمیٹی کو بتایا کہ ممبئی حملوں کے بعد بھارتی ٹیم نے پاکستان کا دورہ کرنے سے کیوں گریز کیا،2014میں سونیا گاندھی کی سربراہی میں قائم اتحاد کی حکومت میں وزیر خارجہ نے بتایا کہ پڑوسی ملک میں کھیلنے کے سیکیورٹی خدشات پر ہم نے دنیا کی مختلف انٹیلی جنس ایجنسیز سے رابطہ کیا،دہشت گردوں کے متعدد حملوں کو دیکھتے ہوئے اس وقت ٹیم کو بھجوانا ممکن نہیں تھا۔

انھوں نے یہ موقف بھی دہرایا کہ جب تک بھارت میں سرحد پار سے دہشت گردی ختم نہیں ہوتی باہمی کرکٹ سیریز ممکن نہیں۔بھارت بورڈ عہدیدار نے سلمان خورشید کے کمیٹی کے سامنے اختیار کیے جانے والے موقف کی تفصیلات میڈیا کو جاری کیں، انھوں نے کہا کہ پی سی بی کے سارے کیس کی بنیاد سابق سیکریٹری بی سی سی آئی سنجے پٹیل کی جانب سے ہونے والی ایک صفحے کی ای میل ہے،ایک تو یہ ایم او یو نہیں لہذاکوئی قانونی حیثیت نہیں، دوسرے سنجے پٹیل نے بگ تھری کی حمایت کا تقاضا کیا تھا، پی سی بی نے اس کیخلاف ووٹ دیا۔

یاد رہے کہ بھارتی کرکٹ بورڈ نے دفاع کیلیے اپنے سابق صدر اور موجودہ چیئرمین آئی سی سی ششناک منوہر،سابق چیف ایگزیکٹیو آفیسر سندر رامن، سابق جنرل منیجر رتناکر شیٹی،سابق سیکریٹری سنجے پٹیل کے نام دیے تھے،ان سب کے نام اس تنازع سے کسی نہ کسی طور جڑے ہوئے ہیں، ابھی تک سلمان خورشید کا کمیٹی میں دیا گیا بیان سامنے آیا ہے، کمیٹی کی سماعت کا بدھ کوآخری روز ہوگا۔

169 بڑے ٹیکس نادہندگان کیخلاف کارروائی شروع

اسلام آباد: وفاقی حکومت کی ہدایت پر ایف بی آرنے بڑے اور با اثر نادہندگان کے خلاف ٹیکس وصولیوں کے لیے کارروائی کا آغازکردیا۔

پہلے مرحلے میں بڑی بڑی جائیدادیں اور 3000 سی سی سے بڑی گاڑیاں خریدنے والوں کے خلاف کارروائی ہوگی جو قیمتی جائیدادیں و قیمتی گاڑیوں کے باوجود ٹیکس نہیں دیتے۔ انکم ٹیکس قانون کے مطابق ان نادہندگان سے واجب الادا ٹیکس کے علاوہ بھاری جرمانہ بھی کیا جائے گا۔

دوسرے مرحلے میں وہ ٹیکس نادہندگان جنہوں نے 2 کروڑ سے زیادہ مالیت کی جائیداد یا 1800سی سی سے بڑی گاڑی خریدنے اور ایک کروڑ سے زائد کرایہ وصول اور گوشوارے داخل نہیں کرانے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

ایف بی آربڑے ٹیکس نادہند گان کے خلاف یہ کارروائی ملک کے طول وعرض میں کی جائے گی تاکہ ٹیکس نادہندگان اپنے ٹیکس گوشوارے جلد سے جلد جمع کرائیں اورواجب الادا ٹیکس ادا کریں۔

 

Google Analytics Alternative