Home » 2019 » February » 03

Daily Archives: February 3, 2019

پارلیمنٹ نے کیسے برداشت کرلیا کہ کوئی دوسرا ادارہ ٹیکس لگائے، بلاول بھٹو

کراچی: چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ پارلیمنٹ نے کیسے برداشت کرلیا کہ کوئی اور ادارہ عوام پر ٹیکس لگائے۔

چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کراچی پریس کلب کا دورہ کیا جہاں انہوں نے نئی گورننگ باڈی  اور سینئر صحافیوں سے ملاقات  کی،  اس موقع پر بلاول بھٹو کو پریس کلب کی اعزازی رکنیت بھی دی گئی۔

پریس کلب میں خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ کراچی پریس کلب سمیت ملک بھر کے پریس کلبز نے ہمیشہ سے جمہوریت کی جدوجہد میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا ہے اور جمہوریت کی مضبوطی میں اپنا کردار ادا کیا ہے، تمام پریس کلبوں کا دورہ کروں اورکوشش کروں گا کہ  ملک بھر کے پریس کلبوں کو سیاست کا مرکز بناؤں، ہم  نے آزادی اظہار رائے کے لیے جدوجہد کرنی ہے  اور آزادی اظہار رائے پر ہونے والے حملوں کا دفاع کرنا ہے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ  پی پی پی نے 18ہویں ترمیم کی صورت میں 1973 کا آئین بحال کیا، حکومت اور دیگر قوتوں کی طرف سے جمہوریت، انسانی حقوق اور 18ہویں ترمیم پر حملے ہورہے ہیں، پی پی پی یہ حملے برداشت نہیں کرے گی اور بھرپور سیاسی جدوجہد کے لیے تیار ہے، 18ہویں ترمیم کو کمزور کرنے والےعدالتی فیصلوں کے خلاف نظر ثانی کے لیے جائیں گے، اگر اس کو کمزور کرنے کی کوشش کی گئی تو ملک کے کونے کونے میں جاؤں گا اور لانگ مارچ کے لیے تیار ہوں لیکن 18ہویں ترمیم اور آئین پر آنچ نہیں آنے دوں گا۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ عدالتوں کی طرف سے عجیب عجیب فیصلے آرہے ہیں، تاریخ میں کبھی ایسا نہیں ہوا کہ مختصر اور تفصیلی فیصلوں میں اتنا اختلاف ہو، عدالتوں کے متضاد فیصلوں پر عوام سوال اٹھائیں گے، عدالتیں اس کی کیا منطقی دلیل دیں گی۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ پچھلے ایک سال میں پارلیمنٹ نے اپنا اختیار بہت پیچھے چھوڑ دیا ہے، حکومت اور اپوزیشن جماعتوں نے پارلیمنٹ کا کھویا ہوا اختیار واپس لینا ہے، قومی اسمبلی نے کیسے برداشت کرلیا کہ کوئی دوسرا ادارہ عوام پر ٹیکس لگائے، سپریم کورٹ سمیت کسی بھی عدالت کو عوام پر ٹیکس نافذ کرنے کا کوئی اختیار نہیں، یہاں تک سینیٹ کو بھی یہ اختیار حاصل نہیں، یہ صرف قومی اسمبلی کا اختیار ہے، ان کے پاس یہ اختیار کیسے گیا اس پر قومی اسمبلی میں بحث ہونی چاہیے، ایگزیکٹیو اختیارات وزیراعظم کو حاصل ہیں جنہیں کوئی دوسرا ادارہ استعمال نہیں کرسکتا، کب تک پارلیمنٹ خاموش بیٹھ کر اس تماشے کو دیکھے گی۔

چیرمین پی پی پی نے کہا کہ اگر باقی اداروں کا ایکٹوازم (فعالیت) ہوسکتی ہے تو پارلیمانی ایکٹوازم کیوں نہیں ہوسکتی، باقی ادارے خود کو طاقتور بناسکتے ہیں تو پارلیمنٹ خود کو طاقتور کیوں نہیں بناسکتی، اگر حکومت پارلیمنٹ کو سنجیدہ لے اور عوام کے مسائل حل کرے تو کامیاب بھی ہوسکتی ہے، ایک بنیادی فلسفہ ہونا چاہیے کہ پہلے انسان بنو پھر سیاست دان، حکمران یا جج بنو، انسداد تجاوزات کے خلاف عدالتوں اور حکومت کے فیصلے انسانی بنیادوں پر نہیں ہیں، میئر کراچی کو غریب لوگوں کی دکانیں اور گھر گراتے دیکھ کر پریشان ہوجاتا ہوں۔

نریندر مودی کے دورہ کشمیر سے پہلے بھارت بوکھلاہٹ کا شکار ہے، پاکستان

اسلام آباد: ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل کا کہنا ہے کہ نریندر مودی کے دورہ مقبوضہ کشمیر سے پہلے بھارت بوکھلاہٹ کا شکار ہوگیا ہے۔

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم پر اظہار مذمت کرتے ہوئے ڈاکٹر محمد فیصل کا ٹوئٹر پر کہنا تھا کہ نریندر مودی کے دورہ مقبوضہ کشمیر سے پہلے بھارت بوکھلاہٹ کا شکار ہوگیا ہے اور بھارتی فورسز نے نہتے کشمیریوں پر مظالم مزید تیز اور بڑھا دیئے ہیں۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ بھارتی فورسز کی جانب سے وادی میں گھر گھر تلاشی اور محاصرے کی کارروائیوں میں اضافہ ہوا ہے اور اس آڑ میں کشمیری نوجوانوں پر ظلم  کے پہاڑ توڑے جارہے ہیں لیکن بھارت یاد رکھے کہ ایسی بزدلانہ کارروائیوں سے کشمیریوں کی تحریک آزادی کو دبایا نہیں جاسکتا۔

نواز شریف کوٹ لکھپت جیل سے سروسز اسپتال منتقل

 لاہور: سابق وزیراعظم نواز شریف کو کوٹ لکھپت جیل سے سروسز اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

کوٹ لکھپت جیل کی انتظامیہ نے سابق وزیراعظم نواز شریف کو سروسز اسپتال لاہور منتقل کردیا ہے جہاں ان کے لیے اسپتال کا وی آئی پی روم مختص کیا گیا ہے جسے محکمہ داخلہ پنجاب نے سب جیل قرار دے دیا ہے۔ سروسز اسپتال میں 3 رکنی میڈیکل بورڈ نواز شریف کا معائنہ کرے گا۔

دوسری جانب وزیر اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان کا کہنا ہے کہ نواز شریف کو کھانے پینے اور ملنے جلنے سمیت تمام سہولیات دی گئیں لیکن مریم نواز اور آل شریف پروپیگنڈا کر رہے تھے کہ نواز شریف سے بہتر سلوک نہیں کیا جا رہا، مسلم لیگ (ن) کے رہنما سروسز اسپتال پر بھی اعتراض اٹھا رہے ہیں۔ سروسز اسپتال میں نواز شریف کے تمام ٹیسٹ کیے جائیں گے،  پی آئی سی سروسز اسپتال کے بالکل ساتھ ہے، ضرورت پڑنے پر انہیں وہاں منتقل کیا جا سکتا ہے، نواز شریف کو رو بصحت ہونے پر دوبارہ جیل منتقل کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ سابق وزیر اعظم نواز شریف مختلف امراض میں مبتلا ہیں۔ ان کے طبی معائنے کے لیے پنجاب حکومت کی جانب سے امراض قلب کے ماہرین پر مشتمل خصوصی میڈیکل بورڈ تشکیل دیا گیا تھا۔ جس نے 30 جنوری کو 2 گھنٹے تک کوٹ لکھپت جیل میں نواز شریف کا طبی معائنہ کیا تھا۔ میڈیکل بورڈ نے میڈیکل رپورٹس کی روشنی میں نواز شریف کو اسپتال منتقل کرنے کی سفارش کی تھی۔

امریکا نے روس کے ساتھ ایٹمی ہتھیاروں کے کنٹرول کا معاہدہ معطل کردیا

واشنگٹن: امریکا نے روس کے ساتھ سرد جنگ کے زمانے کے ایٹمی ہتھیاروں کے کنٹرول سے متعلق اہم بین الاقوامی معاہدہ معطل کردیا۔

امریکا کے سیکریٹری آف اسٹیٹ مائیک پومپیو نے معاہدے کی منسوخی کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ امریکا کی جانب سے مکمل تعاون کے باوجود روس کافی عرصے سے ایٹمی معاہدے کی شقوں کی خلاف ورزی کرتا رہا ہے، جس کی وجہ سے سیکڑوں یورپی اور امریکی شہریوں کی زندگیاں خطرے میں پڑ گئیں۔

واضح رہے کہ امریکا اور سوویت یونین نے 1987 میں ایٹمی ہتھیاروں کے کنٹرول کے معاہدے پر دستخط کیے تھے، جس کا اطلاق جون 1988 سے ہوا تھا۔ اس معاہدے کو انٹرمیڈیٹ رینج نیوکلئیر فورسز ٹریٹی (آئی این ایف) کہا جاتا ہے۔

اس معاہدے کے تحت درمیانے درجے تک مار کرنے والے ایٹمی میزائلوں کی تنصیب پر پابندی لگائی گئی تھی۔

تاہم امریکا نے حال ہی میں روس کی جانب سے لگائے گئے کروز میزائل ’نو واٹور 9M729′ کو اس معاہدے کی خلاف ورزی قرار دیا تھا، لیکن روس نے امریکا کے اس الزام کو مسترد کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس کے میزائل معاہدے کے اندر رہتے ہوئے لگائے گئے ہیں۔

امریکا نے گذشتہ برس اکتوبر میں بھی واضح کیا تھا کہ وہ یہ معاہدہ پہلے 60 روز کے لیے معطل کرے گا اور اگر اس دوران روس مکمل توثیق پر آمادہ نہ ہوا تو امریکا اس معاہدے سے مکمل طور پر دستبردار ہوجائے گا۔

اس حوالے سے گزشتہ روز امریکہ اور روس کے نمائندوں کے درمیان چین کے دارالحکومت بیجنگ میں مذاکرات بھی ہوئے، تاہم کوئی خاطر خواہ کامیابی حاصل نہ ہوسکی۔

نواز شریف کو کچھ ہوا تو ذمہ دار عمران خان ہوں گے، حمزہ شہباز

لاہور: پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حمزہ شہباز نے کہا ہے کہ نواز شریف کی صحت سے متعلق اہل خانہ کو کچھ آگاہ نہیں کیا جا رہا اگر نواز شریف کو کچھ ہوا تو ذمہ دار وزیر اعظم ہوں گے۔

پارٹی کے مرکزی سیکریٹریٹ میں دیگر رہنماؤں کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے حمزہ شہباز نے کہا کہ نیازی صاحب نے وعدہ کیا تھا کہ ہم نئے صوبے بنائیں گے، حکومت جنوبی پنجاب اور بہاولپور کو صوبہ بنائے ہم غیر مشروط حمایت کریں گے۔

حمزہ شہباز نے کہا کہ سانحہ ساہیوال پر جوڈیشل کمیشن بنایا جائے اور جب تک متاثرہ خاندان کو انصاف نہیں ملتا حکومت کا پیچھا نہیں چھوڑیں گے، گالیاں دینے اور الزام تراشی سے 22 کروڑ عوام کا پیٹ نہیں بھرتا، انضما م پلس وزیر اعلیٰ پنجاب نے دو آئی جیز کو چپڑاسی کی طرح فارغ کیا ، مانگے تانگے کے ڈالروں سے معیشت کا بیڑہ غرق کیا جارہا ہے، نیازی صاحب نے پانچ ماہ بعد تسلیم کر لیا ہے کہ معاشی حالات بہتر نہیں ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ (ن) لیگ مشترکہ اپوزیشن کا حصہ ہے، مولانا فضل الرحمن اور اتحادیوں سے مشاورت کے بعد لانگ مارچ سمیت کسی بھی طرح کا فیصلہ کریں گے۔

نیلم جہلم پاور پراجیکٹ سے بجلی کی پیداوار کا دوبارہ آغاز

لاہور: نیلم جہلم پاور پراجیکٹ سے شیڈول کے مطابق بجلی کی پیداوار دوبارہ شروع ہوگئی ہے۔

نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ سے بجلی کی پیداوار کا آغاز اپریل 2018ء میں ہواتھا اور تعمیراتی معاہدے کے تحت اسے 5 جنوری سے 29روز کے لئے تفصیلی انسپکشن کے لئے بند کیا گیا تھا۔ ٹیل ریس ٹنل سے پانی نکالنے کے بعد پلانٹ کا تفصیلی معائنہ کیا گیا جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ منصوبے کے سول ورکس اچھے معیار کے ہیں جبکہ الیکٹریکل اور مکنیکل آلات بھی مطلوبہ معیار کے حامل ہیں۔ زیر زمین ٹیل ریس ، ڈرافٹ ٹیوبز ، بونٹ گیٹس ، ایم آئی ویز ، پیداواری یونٹس اور متصل آلات میں معمولی نوعیت کی مرمت درکار تھی ، جسے کر لیا گیا ہے۔

ریزروائر میں پانی کی مکمل بھرائی کے بعد منصوبے کے سپل ویز اور ڈیم سٹرکچر میں گاد کے اخراج کے لئے نصب کئے گئے گیٹس کو بھی ٹیسٹ کیا گیا ۔ ٹیسٹ کے دوران سپل وے اور مذکورہ گیٹس کے آپریشن کو تسلی بخش پایا گیا۔

دریائے نیلم میں آج کل پانی کا بہاؤ تقریبا ً60کیوبک میٹر فی سیکنڈ (کیومکس) ہے ، جس سے نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کا ایک پیداواری یونٹ چلایا جارہا ہے اور 242 میگاواٹ بجلی پیدا کی جارہی ہے۔ منصوبے کے چاروں پیداواری یونٹ کو چلانے کے لئے تقریباً 280 کیومکس پانی کی ضرورت ہے، جو مارچ اپریل سے دستیاب ہوگا۔ پانی کی دستیابی پر نیلم جہلم پراجیکٹ اپنی پوری صلاحیت کے مطابق 969 میگاواٹ بجلی پیدا کرے گا۔

نیلم جہلم پراجیکٹ ہر لحاظ سے مکمل ہوچکا ہے، منصوبے سے پوری صلاحیت کے مطابق 4 ارب 60کروڑ یونٹ سستی بجلی نیشنل گرڈ کو مہیا کی جائے گی۔ جس سے ہر سال تقریباً50 ارب روپے کی آمدنی ہوگی ۔

واضح رہے کہ نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کے پہلے پیداواری یونٹ سے بجلی کی پیداواراپریل 2018ء میں شروع ہوئی تھی جبکہ 14اگست 2018 تک اس کے تمام چار یونٹس مرحلہ وار مکمل کر لئے گئے تھے ۔نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ تفصیلی انسپکشن سے پہلے نیشنل گرڈ کو ایک ارب 80کروڑ یونٹ بجلی مہیا کرچکا ہے۔

ماہرہ خان پشاور زلمی کی برانڈ ایمبیسڈر برقرار

پشاور زلمی نے سپر اسٹار ماہرہ خان کو پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے چوتھے سیزن کے لیے ٹیم کا برانڈ ایمبسڈر برقرار رکھا ہے۔

پی ایس ایل کے چوتھے سیزن پر پشاور زلمی کی جانب سے ٹوئٹر پر اعلان کیا گیا کہ ’ماہرہ خان ہی پشاور زلمی ٹیم کی برانڈ ایمبیسڈر رہیں گی وہ اس شوق اور لگن کی نشاندہی کرتی ہیں جو پشاور زلمی دکھاتی ہے‘۔

ماہرہ خان کو ایک بار پھر پشاور زلمی نے جوش و خروش کے ساتھ خوش آمدید کہا اور یہ بھی بتایا کہ اداکارہ چوتھی کیٹ اور اینتھم تقریب میں شرکت کریں گی۔

Mahira Khan

@TheMahiraKhan

Zalmiiiiiii👊🏼 @PeshawarZalmi

PeshawarZalmi

@PeshawarZalmi

📢BREAKING: Our #ForeverZalmi @TheMahiraKhan remains in the @PeshawarZalmi Family as the Brand Ambassador for @thePSLt20 4. She symbolises the passion that Zalmi represents. She is also going to be present at the Kit & Anthem Launch Ceremony on 4th. Pakhair Raghlay!😍#YellowStorm

Embedded video

261 people are talking about this

ماہرہ خان نے بھی ایک بار پشاور زلمی کی نمائندگی کرنے پر خوشی کا اظہار کیا۔

دوسری جانب پشاور زلمی نے صوبہ خیبرپختونخوا سے تعلق رکھنے والی خوبرو گلوکارہ گُل پانڑہ کو بھی پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے چوتھے سیزن کے لیے اپنا علاقائی برانڈ ایمبیسڈر مقرر کیا ہے۔

زرعی شعبے اوربیرونی سرمایہ کاری بارے حکومتی پالیسیاں درست سمت کی جانب گامزن

adaria

کسی بھی ملک کی ترقی میں زراعت بہت اہمیت کی حامل ہوتی ہے کیونکہ اجناس انتہائی ضروری چیز ہے ۔ اسی وجہ سے وزیراعظم عمران خان نے زرعی شعبے کی ترقی پرخصوصی توجہ دینے کیلئے ڈیرہ اسماعیل خان کے ممبران قومی اسمبلی سے ملاقات میں ملک میں زراعت کے شعبے کو مستحکم کرنے اور ملکی زراعت کے فروغ کے سلسلے میں چائنا سمیت دوست ملکوں کی جانب سے ٹیکنالوجی و دیگر معاونت سے بھرپور طریقے سے استفادہ کرنے کیلئے صوبوں سے سفارشات طلب کر لیں۔ انہوں نے کہاکہ اس حوالے سے صوبے وفاق کو کسی بھی قسم کی رکاوٹ کے حوالے سے آگاہ کریں اور وفاق اس سلسلے میں صوبوں کی ہرممکن مدد بھی کرے گا۔نیزچین اور ملائیشیا کے مختلف وفود نے بھی وزیراعظم سے ملاقات میں پاکستان میں ایک بڑی سرمایہ کاری کرنے کا اظہار کیا ہے ۔حکومت کی بہترین پالیسی کے پیش نظراب بیرونی دنیا پاکستان میں دلچسپی لے رہی ہے اور حکومت انہیں ون ونڈو کے تحت سہولیات بھی فراہم کرنے کیلئے کوشاں ہے۔ بیرونی سرمایہ کاری سے جہاں پاکستان کے روپے کی قدر مضبوط ہوگی وہاں پر درآمدات اور برآمدات میں بھی اضافہ ہوگا۔ نیز سی پیک بھی اس سلسلے میں سنہرا کردار ادا کرے گا۔پاکستان اس وقت ایشیا کے گیٹ وے کی حیثیت رکھتا ہے ۔ حکومتی پالیسیاں درست سمت کی جانب گامزن ہیں گوکہ اس میں تھوڑا ساوقت درکار ہوگا۔ لیکن حالات بتارہے ہیں کہ وقت کے ساتھ ساتھ معیشت مضبوط ہوتی چلی جائے گی صنعت کو فروغ ملے گا،زراعت مضبوط ہوگی اور ملک میں خوشحالی بھی آئے گی۔ وزیراعظم نے اسی وجہ سے دوٹوک انداز میں کہاہے کہ حکومت کامنشور عوام کی حالت کو بدلناہے اور جب جمہورکی حالت بہتر ہوتی ہے تو جمہوریت بھی مضبوط ہوتی ہے ۔ عوام کی زندگیوں میں حقیقی معنوں میں واضح تبدیلی لانا پی ٹی آئی حکومت کا منشور ہے، حکومت صوبہ خیبر پختونخواہ کی عوام کی بہتری کیلئے پچھلے دور میں کئے جانیوالے اقدامات کو مزید آگے بڑھائے گی تاکہ تعلیم ، صحت اور دیگر شعبوں میں تبدیلی کا عمل مستحکم ہو اور لوگوں کے معیار زندگی میں تبدیلی آئے۔ صوبہ خیبر پختونخواہ میں سیاحت کا بے پناہ پوٹینشل ہے۔ سیاحت کے فروغ سے نہ صرف صوبائی بلکہ ملکی معیشت کو فائدہ ہوگا۔ وزیر اعظم نے ممبران کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرانے کی یقین دہانی کرتے ہوئے صوبائی حکومت کو ہدایت کی کہ کرک اور ڈی آئی خان میں پینے کے پانی کے حل کیلئے پلان تشکیل دیا جائے۔ زراعت کے شعبے کا فروغ حکومت کی اولین ترجیح ہے، زراعت کے شعبے میں ملکی صلاحیت سے مکمل طور پر مستفید ہونے کے سلسلے میں وفاقی حکومت اس سلسلے میں صوبائی حکومتوں کو ہر ممکنہ معاونت فراہم کریگی۔دوسری جانب ملائیشین ایڈوٹکوگروپ کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے چیئرمین نے وزیراعظم عمران خان سے اسلام آباد میں ملاقات کی ہے ۔ایڈوٹکو گروپ کے چیئرمین نے وزیراعظم کے وژن اور حکومتی پالیسیوں کو سراہتے ہوئے کہا کہ ان کا ادارہ ڈیجیٹل پاکستان پروگرام میں پارٹنر بننا چاہتا ہے ۔ وزیر اعظم عمران خان سے چیئرمین چائنا مشینری انجینئرنگ کارپوریشن نے بھی ملاقات کی جس میں کمپنی کی طرف سے پاکستان میں جاری توانائی کے منصوبوں سے متعلق بریفنگ دی گئی ۔ چیئرمین سی ایم ای سی نے کہا کہ کارپوریشن کے پاکستان میں زیادہ تر منصوبے توانائی سے متعلق ہیں۔ جھنگ میں جاری 1263میگاواٹ کے منصوبے سے متعلق بھی بریفنگ دی گئی۔ چائنا مشینری انجینئرنگ کارپوریشن پاکستان میں مزید سرمایہ کاری کرے گی۔ زراعت ، ہاؤسنگ اور توانائی کے شعبوں میں سرمایہ کاری کرنے کا اظہارکیا۔ چیئرمین انجینئرنگ کارپوریشن ژانگ چن نے کہا کہ کارپوریشن ہاؤسنگ پراجیکٹ میں بھی سرمایہ کاری کرے گی۔ وزیراعظم نے کہاکہ تمام سرمایہ کاروں کو ہر ممکن سہولیات فراہم کی جائیں گی۔ وزیراعظم نے کاروبار میں آسانی کے لیے حکومتی اقدامات سے بھی آگاہ کیا۔ ملائیشین کمپنی پاکستان میں ٹاور انفرا اسٹرکچر میں سرمایہ کاری کرنا چاہتی ہے ۔ کمپنی کا منصوبہ ہے کہ آئندہ پانچ سال میں مزید 250 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری کی جائے ۔

بلاول کوتاریخ کامطالعہ کرلیناچاہیے
اس میں کوئی دوسری رائے نہیں کہ بلاول کو اس بات کاعلم ہوناچاہیے کہ نیازی خاندان ان کامحسن ہے اوراگر اس میں کوئی شکوک وشبہات ہیں تو بلاول بھٹو زرداری کو تاریخ کامطالعہ کرناچاہیے۔ اس پارٹی کو نیازی خاندان نے ہمیشہ مشکل وقت میں سہارادیا۔گزشتہ روزپاکستان گروپ آف نیوزپیپرز کے چیف ایڈیٹراورروزنیوز کے چیئرمین ایس کے نیازی نے پروگرام اینالائسزمیں گفتگو کرتے ہوئے کہاہے کہ کسی سیاستدان کودوسرے سیاستدان کے آباؤ اجداد کو برا بھلا نہیں کہناچاہیے عمران خان کے والداکرام اللہ خان نیازی ایماندارشخص تھے، عمران خان کے چچاامان اللہ خان نیازی بہت بڑی سیاسی شخصیت تھے، عمران خان کے والدلندن سے انجینئرنگ کرکے آئے تھے،اکرام اللہ خان نیازی بااصول شخص تھے،ہوسکتاہے عمران خان اکرام اللہ خان نیازی کے نقش قدم پرنہ چل سکیں۔بلاول بھٹو کو یہ پتہ ہونا چاہیے کہ نیازی خاندان ان کا محسن ہے، سیاستدانوں کوعمران خان کے والدپرانگلی اٹھانے سے پہلے اپنے گریباں میں جھانکناچاہیے، عمران خان کو اپنے خاندان پرفخر ہے،جہاں تک میڈیا کا تعلق ہے توآج کل بہت برے حالات ہیں،میڈیا کو پہلے والی ادا ئیگیاں ہی نہیں مل رہیں ،میڈیا کو حکومت کے اشتہارات نہیں مل رہے،چھ مہینے پہلے میڈیا کی بات ہوتی توٹھیک تھا،اب تومیڈیا ختم ہوگیا،جماعت اسلامی پچھلے دور میں پی ٹی آئی کی اتحادی تھی ،ہم اپنے چینل پر پانچ وقت کی اذان نشرکرتے ہیں،ہدایت کے باوجوداورکوئی بھی اذان نشر نہیں کرتا،امام کعبہ جب پاکستان آ ئے تو انہوں نے مجھے ایوارڈ دیا۔ پروگرام میں جنرل(ر)ہدایت اللہ خان نیازی نے اپنی گفتگو میں کہا کہ عمران خان کے والدکرام اللہ خان نیازی ایمانداراوراچھی شہرت کے مالک شخص تھے اکرام اللہ خان نیازی کوذاتی طورپرجانتاہوں،وہ ایماندارشخص تھے،اکرام اللہ خان نیازی کوملازمت سے نکالے جانیکاالزام بے بنیادہے، اکرام اللہ خان نیازی نے ملازت سے خوداستعفیٰ دیاتھا، جنرل عنایت اللہ خان نیازی نے کہا کہ کسی بھی فوجی سے پوچھ لیں جنرل ہدایت اللہ کی ایمانداری کی مثال دے گا،جب جنرل ہدایت اللہ جیسے ایماندارشخص اکرام اللہ خان نیازی ایمانداری اوراچھے شہرت کے مالک انسان تھے بلاول بھٹو کو پہلے اپنے باپ کی طرف دیکھنا چاہیے،کبھی عمران خان کی بہن پرچلے جاتے ہیں اورکبھی انکے والد پر،ہمیں کرپٹ لوگ چاہیں ،ہم ان کو ووٹ دے رہے ہیں،پچھلے 20سال میں ایک چینل بتا دیں جس نے ملکی مسائل پربات کی ہو، جماعت اسلامی میں سے ایک کرپٹ بندہ بتا دیں، عمران خان کے بارے میں لوگ کہتے ہیں وہ ایماندار آدمی ہے۔ ائیر مارشل(ر) اکرام اللہ بھٹی نے پروگرام’’اینالائسز‘‘ میں گفتگو میں کہا کہ میڈیا کو چاہیے کہ جہاں گالم گلوچ والی باتیں نہ دکھائیں،دنیا بھر کا میڈیا اٹھا کردیکھ لیں ،وہ اپنے قومی مسائل کو اجاگر کرتے ہیں،ووٹ تو پارٹی کے منشور کی وجہ سے ملتا ہے، میڈیا اس پوزیشن میں ہے کہ وہ عوام کا مزاج بنا سکتا ہے،ڈاکٹر رمیش کمار نے اپنی گفتگومیں کہا کہ عوام کا احساس تب ہوگا،جب آپ میں اخلاقیات ہوں گے،ہم تو برے بندے کے خلاف بھی اچھے چلتے ہیں،میں نے قرآن شریف کا مطالعہ بھی کیا ہے، ہرمذہب ایک دوسرے کااحترام سیکھاتا ہے، جمہوریت کے اندر بھی کچھ روایات ہوتی ہیں۔

Google Analytics Alternative