Home » 2019 » May » 05

Daily Archives: May 5, 2019

پیسہ بنانے والا ایک لندن بھاگ گیا دوسرا کوشش کر رہا ہے، وزیراعظم

لاہور: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ کرپشن کا خاتمہ حکومت کی اولین ترجیح ہے کیونکہ بدعنوانی اور ترقی کا سفر ایک ساتھ نہیں چل سکتا جبکہ پیسہ بنانے والا ایک لندن بھاگ گیا دوسرا کوشش کر رہا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے اوکاڑہ میں رینالہ خورد میں نیا پاکستان ہاوٴسنگ منصوبے کا سنگ بنیاد رکھ دیا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا  ہمیں پانچ سال میں 50 لاکھ گھربنانےہیں، ریاست غریبوں کو چھت فراہم کرنےکی ذمےداری لے گی، مشکل نہ ہوتا تو پچھلی حکومت یہ کام کرچکی ہوتی، مدینےکی ریاست دنیا کی پہلی فلاحی ریاست تھی، جب ریاست کمزورطبقے کی ذمے داری لیتی ہےتواللہ اس کی مددکرتاہے، مدینےکی فلاحی ریاست میں جانوروں کا بھی خیال رکھا جاتاتھا۔

وزیراعظم نے کہا 50 لاکھ گھر پرائیویٹ سیکٹربنائےگا، پیسہ جب ملک میں آئے تو روزگار بڑھے گا، جب گھروں کی تعمیرشروع ہوگی، مزید40 صنعتیں کھلیں گی اور لوگوں کو روزگارملےگا، گھربنانےکےلیے بینکوں سےقرضہ دیاجائےگا، کم تنخواہ دار طبقہ بھی بینکوں سےقرضہ لےکرگھربناسکےگا40  صنعتیں صرف تعمیرات کےساتھ جڑی ہوئی ہیں۔

وزیراعظم عمران خان نے کچی آبادیوں کے حوالے سے کہا چین کےتعاون سےکچی آبادیوں کےلیےنئی تیکنیک لا رہےہیں، کچی آبادیوں میں پہلےسےموجودگھروں کی جگہ گھربنائیں گے، اسٹیٹ بینک نے قانون تبدیل کیاہے تاکہ قرضے دے سکیں۔

بعدازاں لاہور میں ایچی سن کالج میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ پیسہ بنانے والا ایک لندن بھاگ گیا ،دوسرا کوشش کر رہا ہے، پیسے بنانے والوں کا برا حال ہوتا ہے، عظیم لوگ پیسے کمانے سے نہیں بلکہ ذمہ داری نبھانے سے بنتے ہیں۔

اس سے قبل وزیراعظم عمران خان لاہور کے دورے پر پہنچے تو ڈائریکٹر جنرل اینٹی کرپشن اعجاز حسین شاہ نے وزیراعظم سے ملاقات کی اس موقع پر وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار بھی موجود تھے۔

وزیراعظم عمران خان نے اعجاز شاہ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کرپشن کا خاتمہ حکومت کی اولین ترجیح ہے، کرپشن کے ناسور نے ملکی معیشت کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا ہے، اداروں کو تباہ کیا ہے اور عام آدمی کی زندگی کو متاثر کیا ہے، کرپشن اور ترقی کا سفر ایک ساتھ نہیں چل سکتا، کرپشن کے خاتمے اور بدعنوان عناصر کے خلاف بلاتفریق و امتیاز کارروائی کو ایک مشن سمجھ کر پورا کیا جائے، حکومت اس ضمن میں ہر ممکنہ تعاون فراہم کرے گی۔

حکومت کا آئی ایم ایف کے افسر رضا باقر کو گورنر اسٹیٹ بینک بنانے پر غور

اسلام آباد: نئے گورنر اسٹیٹ بینک کیلئے آئی ایم ایف میں تعینات سینئر نمائندے ڈاکٹر رضا باقر سمیت دیگر ناموں پر غور کیا جارہا ہے۔

نئے گورنر اسٹیٹ بینک کیلئے آئی ایم ایف میں تعینات سینئر افسر ڈاکٹر رضا باقر سمیت دیگر ناموں پر غور کیا جارہا ہے۔ اسلام آباد میں میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے مشیر خزانہ حفیظ شیخ کا کہنا تھا کہ گورنر اسٹیٹ بینک کی تقرری کا نوٹی فیکیشن جلد جاری کردیا جائے گا۔

مشیرخزانہ نے کہا کہ جو اچھے لوگ ہیں ان کو واپس لایا جا رہا ہے، رضا باقر سمیت جو اچھے لوگ ہیں ان سے رابطہ کررہے ہیں، وزیراعظم کی ٹیم گورنراسٹیٹ  بنک کے عہدے کیلیے دیگرشخصیات سے بھی رابطےمیں ہے۔

واضح رہے کہ رضا باقر اس وقت  مصر میں آئی ایم ایف کے عہدیدار ہیں اور نئے گورنر اسٹیٹ بینک کے عہدے پرتعیناتی کے لیے پاکستانی حکام نے رضا باقر سے رابطہ بھی کیا ہے، ذرائع کا کہنا ہے کہ رضا باقرگورنر اسٹیٹ بینک کے عہدے کے لیے مضبوط امیدوارہیں۔

ملک کو درپیش دفاع اور سیکیورٹی کے چیلنجز سے بخوبی واقف ہیں، آرمی چیف

 راولپنڈی: پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا ہے کہ ہم ملک کو درپیش دفاع اور سکیورٹی کے چیلنجز سے اچھی طرح واقف ہیں۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے لائن آف کنٹرول پر این ایل آئی بٹالین کا دورہ کیا، آرمی چیف نے آپریشنل تیاریوں اور جوانوں کے بلند حوصلے اور جذبے کو سراہا اور بھارتی اشتعال انگیزی کے منہ توڑ جواب دینے کی تعریف کی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا تھا کہ ہم ملک کودرپیش دفاعی اور سیکیورٹی چیلنجزسے بخوبی آگاہ ہیں اور ’’محاذ سے قطع نظر‘‘ تمام خطرات کو شکست دینے کی  بھرپور صلاحیت رکھتے ہیں۔

وزیراعظم کی رمضان المبارک میں مہنگائی کو کنٹرول کرنے کے لئے واضح ہدایات

رمضان المبارک کی آمدسے قبل وزیراعظم نے مہنگائی کو کنٹرول کرنے کے لئے واضح ہدایات کی ہے کہ اس ماہ مبارک میں اشیائے خوردونوش مہنگی نہیں ہونی چاہئیں ، کیونکہ ماضی میں یہ وطیرہ رہاہے کہ جیسے ہی رمضان المبارک کا آغاز ہوتاہے مہنگائی قابو سے باہر ہوجاتی ہے،یہ ہدایات دینا موثراقدام ہے تاہم ضرورت اس امر کی ہے کہ اس پرعملدرآمد کیاجائے اگر ملک بھر میں سروے کیاجائے تو معلوم ہوتا ہے کہ اشیاء کی قیمتوں میں ہوشرباء اضافہ کردیاگیاہے ،ٹماٹر، کھجوریں اورسبزیوں کی قیمتیں آسمان سے باتیں کررہی ہیں انہی حالات کو دیکھتے ہوئے وزیر اعظم نے رمضان المبارک میں اشیائے خورد و نوش کی مقررہ نرخوں پرفراہمی یقینی بنانے کی ہدایت کی ہے، وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ سحر و افطار میں بجلی، گیس اور پانی کی لوڈ شیڈنگ نہ کی جائے،منافع خوری اور ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کے خلاف فوری ایکشن لیا جائے، رمضان المبارک میں امن و امان کی صورتحال پر بھی مکمل نظر رکھی جائے،انتظامیہ کے افسران فیلڈ میں اپنی موجودگی کو یقینی بنائیں ،مانیٹرنگ کےلئے صوبائی حکومتوں کی سطح پر کنٹرول روم بنانے کی ہدایت کردی، چیف سیکرٹری پنجاب نے وزیر اعظم کو بریفنگ میں بتایا کہ پنجاب بھر میں 300سے زائد رمضان بازار قائم کئے جا رہے ہیں ،خوردونوش کی 10ضروری اشیاء پر سبسڈی فراہم کی جائے گی ۔ کنٹرول روم کا مقصد ماہ رمضان میں انتظامی کنٹرول کو مزید موثر بنانا ہے، حکومت کو عوام کی مشکلات کا مکمل ادراک ہے، حکومت کی کوشش ہے کہ عوام کو ہر ممکن ریلیف فراہم کیا جائے ماہ رمضان میں اشیائے خوردرنوش کی طے شدہ قیمتوں پر دستیابی کےلئے مانیٹرنگ نہایت اہم ہے، ضلعی مارکیٹ کمیٹیوں کے متحرک کردار کی مسلسل مانیٹرنگ اہمیت کی حامل ہے ۔ وفاقی اور صوبائی حکومتوں میں مکمل رابطہ اور مسلسل مانیٹرنگ اہم ہے، منافع خوری اور ذخیرہ اندوزی کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی، انتظامیہ منافع خوروں اور ذخیرہ اندوزوں کے خلاف کارروائی یقینی بنائے ۔ نیز وزیراعظم عمران خان نے سینئرصحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ مفاد عامہ کی قانون سازی میں اپوزیشن سے مثبت کردار کی توقع ہے، پاکستان کے عوام باشعور اور حقیقت کا ادراک رکھتے ہیں ،عوام جانتی ہے کہ حکومت ان کی بہتری اور فلاح وبہبود کیلئے سنجیدہ ہے،اسمبلی میں متعارف کیے جانیوالے قوانین نظام کی تبدیلی کی طرف پہلا قدم ہے ۔ لیگل اینڈ جسٹس اتھارٹی انفورسمنٹ آف وومن،پراپرٹی راءٹس کے حوالے سے قوانین کو میڈیا ارکان کو بتایا ۔ پاکستان کے عوام باشعور اور حقیقت کا ادراک رکھتے ہیں ،عوام جانتی ہے کہ حکومت ان کی بہتری اور فلاح وبہبود کیلئے سنجیدہ ہے،قانون سازی کا مقصد جلد اور سہل انصاف کی فراہمی کو یقینی بنانا ہے،حق دار کو حق دلانا،انصاف کی فراہمی اور کرپشن خاتمے میں عوام کو شراکت دار بنانا ہے،مقصد عوام کی بہتری اور فلاح ہے،اس کیلئے حکومت کردار ادا کررہی ہے ۔ نئے بل منظور ہونے سے عوام کو فوری سستا انصاف ملے گا ۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ مفادعامہ کے بلوں کوقانون بنانے میں اپوزیشن کتناتعاون کرتی ہے ۔ غیرمنتخب ماہرین کوکابینہ میں شامل کیاگیاہے کیونکہ پاکستان کامیرٹ باہرچلاگیاہے جہاں اچھے لوگ ملیں گے وہاں سے ماہرلوگ لائیں گے ۔ وفاقی کابینہ میں کارکردگی کی بنیاد پرتبدیلیاں ہوں گی ،وزارتوں کی تبدیلی بیٹنگ آرڈر کی تبدیلی ہے جب کابینہ کوضرورت پڑی تو تبدیلی کردیں گے ۔ ملک میں پارلیمانی نظام ہی رہے گا کوئی صدارتی نظام نہیں آرہا،کئی ادارے ہمارے ہاتھ میں نہیں ہیں ہم نے پانچ سال بعدعوام کوسروسزبلوں کاحساب دیناہے ۔ عمران خان نے کہاکہ وہ جب بھی اسمبلی میں آئے تواپوزیشن جماعتوں نے غیرمہذب زبان کا استعمال کیا،وہ جوبھی قدم مفادعامہ کے لئے اٹھاتے ہیں پھرمولانافضل الرحمان کابیان آجاتا ہے کہ یہودی لابی کے کہنے پرقدم اٹھارہاہوں ۔ اب بات یہ ہے کہ ہمارا موقف قوم کے سامنے ہے ،جمہوریت کے نام پرڈاکہ مارنا اب نہیں چل سکتا، یہ قانون سازی ہم عوام کی زندگی بہتر بنانے کے لئے کررہے ہیں اپوزیشن اس کی مخالفت بھی کرسکتی ہے ۔

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ،مہنگائی کودعوت

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ہوشرباء اضافہ کرنے کامقصد ملک بھر میں مہنگائی کے جن کو بے قابو کرناہے ،پھررمضان المبارک کی آمد سے قبل اس اقدام کامقصد عوام کے منہ سے دووقت کی روٹی چھیننے کے مترادف ہے گوکہ مشیرخزانہ نے کہہ دیا کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں کم کرنا ان کے بس میں نہیں ۔ اب دیکھنے کی بات یہ ہے کہ جو کچھ حکومت کے بس میں ہے اس کو توپایہ تکمیل تک پہنچائے ، حکومت کو چاہیے کہ کم ازکم رمضان المبارک کے احترام میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ نہ کرے یہ تمام تر فیصلہ وزیراعظم کے ہاتھ میں ہے ۔ اقتصادی رابطہ کمیٹی نے پیٹرول کی قیمت میں 9 روپے اور ڈیزل کی قیمت میں 5روپے فی لیٹر اضافے کی سفارش کردی ۔ وزیراعظم عمران خان کے مشیر برائے خزانہ عبدالحفیظ شیخ کی زیر صدارت اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا معاملہ زیر غور ;200;یا ۔ حکومت پیٹرول کی مد میں 5 ارب روپے کا بوجھ برداشت کرے گی تاہم قیمتوں میں اضافے کی حتمی منظوری وزیر اعظم عمران خان دیں گے ۔ وزیراعظم نے منظوری دے دی تو پیٹرول کی نئی قیمت 108 روپے فی لیٹر ہوجائے گی ۔ یاد رہے کہ گزشتہ دنوں اوگرا نے مئی کیلئے پیٹرول 14 روپے تک مہنگا کرنے کی سفارش کی تھی تاہم وفاقی کابینہ نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ مخر کرتے ہوئے معاملہ اقتصادی رابطہ کمیٹی کو بھیج دیا تھا ۔ دوسری جانب مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ نے کہا ہے کہ تیل کی قیمت کنٹرول کرنا حکومت کے ہاتھ میں نہیں ، آئی ایم ایف کے ساتھ معاملات جلد طے ہو جائیں گے، اس کے بعد صورتحال بہتر ہوجائے گی، نئے بجٹ میں عام ;200;دمی کی فلاح ترجیح ہوگی ۔ حکومت نے اخراجات کم کرنے کیلئے ٹھوس اقدامات اٹھائے ہیں ، محاصل میں اضافے کیلئے مربوط اقدامات کیے جا رہے ہیں ، در;200;مدات اور بر;200;مدات میں توازن لانے کی ضرورت ہے ۔

گورنرسٹیٹ بنک اورچیئرمین ایف بی آر تبدیل

پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے وفاقی کابینہ میں ردوبدل کے بعد معاشی چیلنجز سے نمٹنے کے لئے معاشی ٹیم میں بھی تبدیلی کردی ہے ،گورنر سٹیٹ بنک اور چیئرمین ایف بی آرکو عہدوں سے ہٹادیاگیاہے جبکہ اس کے بعد مزیدنئی تبدیلیوں کے بھی امکانات ہیں ۔ گورنر سٹیٹ بنک طارق باجوہ نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دیدیا وزیراعظم نے استعفیٰ منظورکرلیاہے ۔ ریونیو میں بڑے پیمانے پر شارٹ فال کی وجہ سے چیئرمین ایف بی آر جہانزیب خان کو بھی ان کے عہدے سے ہٹادیاگیاہے ۔ حکومت کی جانب سے یہ اقدام اداروں کی بہتری کے لئے ہے تاکہ ان کی کارکردگی بہتر ہوسکے ، یہ دیگراداروں کے سربراہوں کے لئے بھی ایک مثال ہے کہ اگر وہ کام نہیں کریں گے تو حکومت انہیں تبدیل کردے گی ۔

سعودی عرب میں رمضان المبارک کے چاند سے متعلق اعلان کردیا گیا

ریاض: سعودی عرب میں رمضان المبارک کا چاند نظر نہیں آیا  اور اب مملکت میں پہلا روزہ پیر کو ہوگا۔

عرب ٹی وی کے مطابق رمضان المبارک کا چاند دیکھنے کے لئے سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات میں عدالتی کونسل کا اجلاس ہوا جس میں کونسل ممبران کو چاند نظر آنے کی کوئی شہادت موصول نہیں ہوئی ۔ اس کے بعد عرب ممالک میں پہلا روزہ بروز پیر 6 مئی کو ہوگا۔

عرب ماہرین کے مطابق جمعرات کو رمضان المبارک کا چاند نظر آنے کے امکانات بہت کم تھے اور اسی بنا پر متحدہ عرب امارات، قطر، کویت، اردن، فلسطین، مسقط اور دیگر ممالک میں بھی رویت ہلال کی ذیلی کمیٹیاں قائم کی گئی تھیں ۔ جنہوں نے ہلالِ رمضان کی کوئی شہادت بیان نہیں کی۔

دوسری جانب آسٹریلیا میں بھی رمضان المبارک کا چاند نظر نہ آنے کا اعلان کیا گیا ہے۔

چند لوگ را سے فنڈز لیکر لوگوں کو گمراہ کر رہے ہیں، وزیرخارجہ

ملتان: وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ چند افراد کے دشمنوں سے تعلقات کے ثبوت اداروں کے پاس موجود ہیں، وہ لوگ را اور دیگر ایجینسیوں سے فنڈز لے کر عوام کو گمراہ کر رہے ہیں۔

ملتان میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہ وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ مولانا مسعود اظہر کے معاملے پر بھارت کو منہ کی کھانی پڑی اس نے مسعود اظہر سے متعلق جو جال بچھایا اسی میں پھنس گیا، ہمارے پاس ثبوت ہیں کہ چند لوگ را اور دیگر ایجینسیوں سے فنڈز لے کر لوگوں کو گمراہ کر رہے ہیں۔ بھارت پاک چین دوستی سے متعلق پروپیگنڈا کر رہا ہے، دشمن کے اس ایجنڈے کو اپنے ذہن پرسوار نہ کیا جائے، چین پاکستان کا بہترین دوست ہے اور رہے گا۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ گورنر اسٹیٹ بینک اور چیئرمین ایف بی آر کو کارکردگی کی بنیاد پر ہٹایا گیا، افسران کے تبادلے ہوتے رہتے ہیں یہ کوئی نئی بات نہیں، اپوزیشن جس تبدیلی پر طنز کر رہی ہے پہلے اس کی وجوہات تو دیکھ لے، مسلم لیگ (ن) کی قیادت بتائے کہ رات و رات مرکزی عہدوں میں تبدیلی کیوں کی گئی، ان کی پارٹی کے لوگ بھی عہدوں میں تبدیلی سے لاعلم تھے، (ن) لیگ والوں نے خود اپنی پارٹی میں گینگ آف فور کی نشاندہی کی جو پارٹی پر مسلط ہے اور فیصلے کررہا ہے، نئے چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کے حوالے سے پیپلزپارٹی سے بھی مشاورت نہیں کی گئی، شہباز شریف کی واپسی کے حوالے سے بعد میں ہی معاملات واضح ہوں گے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ اپوزیشن والے منتخب حکومت کے مینڈیٹ کا احترام کریں اور 5 سال پورے ہونے کا انتظار کریں، ملک میں بگاڑ کا ذمہ دار کون ہے؟ کیا یہ سب 8 ماہ میں ہوا ہے، موجودہ مشکل حالات کے ذمے دار ماضی کے حکمران ہیں، ماضی کی حکومتوں کے معاشی بگاڑ کو سدھارنے میں وقت لگے گا۔ مہنگائی کی وجوہات ہیں، عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتیں بڑھیں جس کا پاکستان اثر پڑے گا، ڈالرکی قدر کم ہونے سے مہنگائی کم ہوجائے گی، ادویات کی قیمتیں واپس لانے کی کوشش جاری ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ قبائلی علاقے والے محب وطن پاکستانی ہیں، حکومت قبائلی علاقوں کے مسائل کو حل کرے گی، سندھ حکومت سے درخواست ہے کہ قبائلی علاقوں کی ترقی کے لئے 3 فیصد حصہ دے اور تنگ نظری کا مظاہرہ نہ کرے۔

افغانستان میں بھارتی فوج کی تعیناتی

بھارتی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ چونکہ افغانستان میں دہشت گردی عروج پر ہے لہٰذا بھارت پر بھی اس کے برے اثرات پڑ رہے ہیں ۔ بھارت کو اپنے مفادات کے تحفظ کےلئے افغانستان میں قدم جمانے ہوں گے تاکہ افغانستان پاکستان کے رحم و کرم پر نہ رہ جائے ۔ یہ حقیقت ہے کہ افغانستان میں امریکی جارحیت کے بعد بھارت کو اپنا اثرو رسوخ بڑھانے کا نہ صرف موقع ملا بلکہ بھارت نے افغانستان کو وطن عزیز میں دہشت گردی کےلئے بھی استعمال کیا ۔ اب جب کہ امریکہ افغانستان سے تقریباً نکل چکا ہے اورصرف اس کی دم اٹکی ہوئی ہے تو بھارتی افواج کو افغانستان فورس کا حصہ بنانے کےلئے امریکہ اور بھارت کے مابین بات چیت چل رہی ہے ۔ بھارت نے افغان حکومت پر اپنا اثر و رسوخ جمانے کے بعد افغانستان میں اپنے قونصل خانوں کا وسیع جال پھیلا دیا جہاں سے پاکستان کے مختلف صوبوں میں عدم تحفظ اور عدم تحفظ کےلئے کارروائیاں کی جانے لگیں ۔ افغانستان میں نگر نگر بھارتی قونصل خانے اور را کے ٹریننگ سنٹر قائم ہونے لگے جبکہ دوسری طرف پاکستانی قونصل خانوں پرحملے، لوٹ مار، پتھراوَ اور جلاوَ گھیراوَ کا سلسلہ چل نکلا ۔ وہ پاکستان جس کا افغانستان کے ساتھ صدیوں سے مذہبی، علاقائی، قومی، جغرافیائی اور سیاسی اعتبار سے اٹوٹ رشتہ تھا وہ افغانستان کے لئے اجنبی ٹھہرا ۔ پاکستان نے افغان حکومت کی توجہ اس جانب دلائی مگر کوئی شنوائی نہ ہوئی اس سے بھارت کے حوصلے مزید بڑھے اور انہوں نے بلوچستان میں بلوچ لبریشن آرمی اور مفاد پرست بلوچ سرداروں کو افغانستان کے راستے مسلح کرنا شروع کر دیا ۔ شمالی وزیرستان میں شرپسند عناصر کی ملک دشمن کارروائیاں اور افغانستان سے بلوچ لبریشن آرمی کو اسلحہ و بارود کی سپلائی کے تانے بانے افغانستان سے بھارت میں جا کر ملتے ہیں ۔ بھارت کی سرتوڑ کوشش اور خواہش ہے کہ افغانستان میں امن و امان قائم نہ ہو اور نہ ہی افغانستان کے قبائل کو پاکستان کے خلاف استعمال کرتے ہوئے پاکستان کے خلاف منافرت پھیلاتا رہے ۔ انٹیلی جنس ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق قندھار میں بھارتی قونصلٹ سینکڑوں دہشت گردوں کو چمن کے راستے بلوچستان بھیج رہا ہے ۔ ان دہشت گردوں کو چھ ماہ تک بھارت میں تربیت دی جاتی ہے ۔ بھارتی خفیہ ایجنسی ’’را‘‘کے ایجنٹ افغانستان میں اسی بات کے لئے تعینات کئے گئے ہیں کہ وہ بھارتی اسلحہ پاکستان میں اپنے ٹاوَٹوں اور ایجنٹوں کو فراہم کریں تاکہ وطن عزیز میں امن و امان کا مسئلہ پیدا ہوتا رہے ۔ اس کے ساتھ ساتھ ’’را‘‘ کے ایجنٹ افغانستان سے افغانیوں کے بھیس میں پاکستان میں داخل ہو کر یہاں دہشت گردی پھیلانے کی کوشش کرتے ہیں ۔ وزیرستان میں موجود نام نہاد طالبان کو بھارت سے اسلحہ مل رہا تھا ۔ یہ لوگ کرائے کے قاتل ہیں ان کا کوئی دین مذہب نہیں ۔ یہ لوگ بھارتی اشارے پر پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کرنا چاہتے ہیں ۔ بیشتر خود کش حملوں اور بم دھماکوں کی کڑیاں جنوبی وزیرستان سے ملتی ہیں جن کے پیچھے بھارت کا ہاتھ ہے ۔ آج کل پی ٹی ایم بھارت کی پسندیدہ تنظیم ہے اور بھارت اسے دہشت گردی ، دھرنوں اور جلسے جلوسوں کےلئے پیسے دے رہا ہے ۔ بھارت نے افغانستان میں سفارتی، فوجی اور انٹیلی جنس کی موجودگی بڑھا دی ہے ۔ کابل میں سفارت خانہ کے علاوہ قندھار، جلال آباد، مزار شریف اور ہرات میں قونصل خانے ہیں ۔ یہ قونصل خانے پاکستان کے خلاف بھارتی خفیہ کارروائیوں کے بڑے مراکز ہیں ۔ جہاں افغانستان کی سرزمین کو پاکستان کے خلاف استعمال کیا جاتا ہے ۔ بھارتی قونصل خانوں نے پاکستان بالخصوص بلوچستان اور قبائلی علاقوں اور سندھ میں وطن دشمن سرگرمیاں شروع کر رکھی ہیں ۔ پاکستان پر مغربی سمت سے وار کرنے کےلئے بھارت افغانستان میں ڈیڑھ لاکھ فوج تعینات کرنا چاہتا ہے ۔ بھارت کا کہنا ہے کہ افغانستان میں اس کے سیکورٹی مسائل ہیں جس کی وجہ سے وہ وہاں اپنی فوج رکھنا چاہتا ہے مگر بھارت کی یہ دلیل بے وزن ہے ۔ افغانستان ایک مسلم ملک ہے جس کی بھارت کے ساتھ کوئی سرحد نہیں ملتی پھر بھارت کے سیکورٹی خدشات کیا ہو سکتے ہیں ۔ اس کا مقصد یہ ہے کہ پاکستان پر دباوَ بڑھا یا جائے تاکہ پاکستان کو اپنی فوج مشرقی اور مغربی سرحد پر تقسیم کرنی پڑے ۔ امریکہ اور اسرائیل کو بلوچستان میں معدنیات گیس، تیل اور قیمتی ہیرے جواہرات کے خزانے نظر آرہے ہیں ۔ وہ نہیں چاہتے کہ پاکستان مستقبل میں ان خزانوں سے استفادہ کر سکے ۔ یہود و نصاریٰ اور ہنود ایک ایسا اتحاد ثلاثہ ہے جو بلوچستان کو پاکستان سے علیحدہ کر کے افغانستان اور ایران کے بعض علاقے اس کے ساتھ ملا کر گرم پانیوں کے ساحل کو گریٹر بلوچستان کے نام پر اپنی زیر تسلط ریاست بنانا چاہتا ہے ۔ امریکہ ، بھارت اور اسرائیل ہمارے ایٹمی پروگرام کو تباہ کرنے کےلئے باہم گٹھ جوڑ کر رہے ہیں ورنہ خطے میں ان کے کیا مفادات ہو سکتے ہیں ۔ افغانستان کی سرزمین ان تینوں ممالک کی سازشوں کا مرکز ہے جہاں کی کٹھ پتلی اشرف غنی حکومت اپنے اقتدار کو دوام بخشنے کےلئے ہر طرح کا حکم ماننے پر بخوشی راضی ہے ۔

ملک میں آئی ایم ایف کی حکومت ہے، مریم اورنگزیب

اسلام آباد: ترجمان مسلم لیگ (ن) مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ ملک میں آئی ایم ایف کی حکومت ہے، پیٹرول مہنگا ، گیس اور بجلی مہنگی، کیونکہ وزیر آئی ایم ایف کا ہے۔

اسلام آباد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف کے پاس جانے پر خودکشی کا دعویٰ کرنے والوں نے ملک اور قوم کو آئی ایم ایف کے پاس ہی گروی رکھ دیا ہے، حکومت 9 ماہ میں اپنے وعدہ کے مطابق صرف عوام کی چیخیں نکلوانے میں کامیاب ہوئی، عمران بتائیں کہ ٹیکس ریوینیو میں ساڑھے 4 سو ارب کا خسارہ بھی کیا مسلم لیگ (ن) کی حکومت کی وجہ سے ہے۔

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی مذمت کرتے ہوئے ترجمان مسلم لیگ (ن) نے کہا کہ پہلے عوام کے منہ سے روٹی چھینی اور اب رمضان سے پہلے پیٹرول مہنگا کر کے چولہے بند کر دیئے ہیں، پیٹرول مہنگا ، گیس اور بجلی مہنگی، کیونکہ وزیر آئی ایم ایف کا ہے، وزیر کے بعد اب گورنر اسٹیٹ بینک اور ایف بی آرکا چئیرمین بھی آئی ایم ایف کا ہو گا، رمضان سے پہلے پٹرول کی قیمتوں میں اضافہ بہت بڑی زیادتی اور ظلم ہے اور اِس بات کا ثبوت ہے کہ ملک میں آئی ایم ایف کی حکومت ہے

Google Analytics Alternative