Home » 2019 » July » 09

Daily Archives: July 9, 2019

عدلیہ کو جج ارشد ملک کی مبینہ ویڈیو کا نوٹس لینا چاہیے، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے حکومتی ترجمانوں کو ہدایت کی ہے کہ ن لیگ کی جانب سے اداروں پر حملوں کا منہ توڑ جواب دیا جائے جبکہ عدلیہ کو جج ارشد ملک کی مبینہ ویڈیو کا نوٹس لینا چاہیے۔

اسلام آباد میں وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت حکومتی ترجمانوں کا اجلاس ہوا۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ اداروں کو متنازع بنانے کی کوشش کی جارہی ہے، لہذا ن لیگ کے ہتھکنڈوں اور اداروں پر حملوں کا منہ توڑ جواب دیا جائے۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ن لیگ ماضی میں بھی عدلیہ پردباوٴ ڈالتی رہی ہے، لیکن یہ نیا پاکستان ہے اور اب ایسا نہیں چلے گا، اپوزیشن کا کوئی حربہ کارگر ثابت نہیں ہوسکے گا اور احتساب کا عمل جاری رہے گا۔

جج ارشد ملک کی مبینہ ویڈیو پر وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ اس معاملے میں حکومت کو فریق نہیں بننا چاہیے، عدلیہ آزاد اور خود مختار ہے، عدلیہ کو مبینہ ویڈیو کا نوٹس لینا چاہیے۔

واضح رہے کہ مسلم لیگ (ن) نے نواز شریف کو العزیزیہ ریفرنس میں سزا سنانے والے احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کی مبینہ ویڈیو جاری کرتے ہوئے الزام لگایا ہے کہ جج نے دباؤ میں سزا کا فیصلہ دیا جس کے لیے ان کی غیر اخلاقی ویڈیو سے انہیں بلیک میل بھی کیا گیا۔

عمران خان کو سلیکٹ کرنیوالے بھی پریشان ہیں ملک کس نالائق کے حوالے کردیا، بلاول

لوئر دیر: 

چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ عمران خان کو سیلکٹ کرنے والے بھی پریشان ہیں کس نالائق کو لے آئے ہیں۔

لوئردیر میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ عوام کے دلوں میں وہی زندہ رہ سکتا ہے،جس نےعوام کو اپنا مانا ہو، کیا آج کوئی ضیاء الحق اور پرویز مشرف کا نام لینے والا ہے، ضیاء اور مشرف کا دور صرف سیاہ دور کے نام سے یاد کیا جاتا ہے جب کہ عمران خان انصاف کی بات کرتے تھے آج ان کی  سیاست انتقام کی سیاست ہے اور آج ہمارا مقابلہ سلیکٹڈ وزیراعظم سے ہے جو ہمارے حقوق چھیننا چاہتا ہے۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ لوگ پہلے ہی سال اس حکومت کے جانے کی دعا کررہے ہیں، آج ہر طبقہ پریشان ہے، یہاں تک کہ عمران خان کو سلیکٹ کرنے والے بھی پریشان ہیں ملک کس نالائق کے حوالے کردیا اور آج ان کی نالائقی کو چھپانے کے لیے عوام پر بوجھ ڈالا جارہا ہے، اس عوام دشمن بجٹ میں، بجلی و گیس، دالیں، ڈالر، پیٹرول، دودھ اور دوائیں مہنگی کردی گئیں۔

چیئرمین پیپلزپارٹی کا کہنا تھا کہ عمران خان عوام کوخوشحال کرنےکی بات کرتے تھے آج عوام کومعاشی بحران میں ڈال دیا ہے، یہ کہتے تھے لوگ مجھ ایماندار کو اس قدر ٹیکس دیں گے اور جب وزیراعظم بنوں گا، سب ٹھیک ہوجائے گا لیکن آج صورتحال اس کے برعکس ہے، عمران خان میڈیا کی آزادی کی بات کرتے تھے آج میڈیا کا گلا گھونٹ رہے ہیں، کہتے تھے خودکشی کرلوں گا لیکن آج معیشت کو آئی ایم ایف کے پاس گروی رکھ دیا ہے۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ عمران خان سن لو، میری پارٹی یا خاندان کو جیل بھیج دو لیکن اصولوں پر سمجھوتا نہیں ہوسکتا اور نہ ہی 18ویں ترمیم اور جمہوریت پر کوئی سمجھوتا ہوسکتا ہے، میں ذوالفقار علی بھٹو اوربے نظیر بھٹو کا مشن جاری رکھوں گا، عوام میری ہمت اورسرمایہ ہیں ہم سب مل کر قائد اور بھٹو کا پاکستان بنائیں گے، اس ظالم نئے پاکستان سے جان چھڑانی ہے۔

احتساب عدالت کے متعلقہ جج نے مبینہ ویڈیو کو مسترد کردیا

مریم نواز کی جانب سے جاری کی گئی مبینہ ویڈیو کو متعلقہ جج نے دوٹو ک انداز میں مستر د کرتے ہوئے اس کو جعلی قراردیدیا ہے جبکہ مریم نواز یہ کہتی ہیں کہ ویڈیو کی تردید کرکے جج نے اس کی تصدیق کردی ہے ۔ حکومت کا کہنا ہے کہ وہ فرانزک آڈٹ کرائے گی اور اس حوالے سے تحقیقات بھی خود کرے گی جبکہ پیپلزپارٹی اور جماعت اسلامی نے اس حوالے سے عدالتی کمیشن بنانے کا مطالبہ کیا ہے ۔ ن لیگ بھی فرانزک آڈٹ کیلئے تیار ہے جبکہ وہ کہتی ہے جب عدالت میں ویڈیو پیش کی جائے گی تو اس کے ساتھ مزید ثبوت بھی لف کردئیے جائیں گے ۔ ویڈیو جاری کرکے ن لیگ نے عدلیہ پر ایک حملہ کیا ہے جبکہ ویڈیو پیش کرنے کا یہ مناسب فورم بھی نہیں تھا ۔ اگر ایسا کوئی مسئلہ تھا تو عدالت میں جاکر ثبوتوں کے ہمراہ پیش کی جانی چاہیے تھی جبکہ پبلک فورم پر یہ اقدام اٹھا کر ملکی سیاست اور اداروں کو پراگندہ کرنے کی ناکام کوشش کی گئی ہے ۔ اسلام آباد کی احتساب عدالت نمبر دو کے جج محمد ارشد ملک نے گزشتہ روز پاکستان مسلم لیگ (ن)کی نائب صدر مریم نواز شریف کے جانب سے جاری ویڈیو کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ مجھ پر بطور جج بلواسطہ یا بلاواسطہ کوئی دباءو نہیں تھا ۔ نواز شریف کیخلاف مقدمات کی سماعت کے دوران مجھے بارہا انکے نمائندوں کی طرف سے نہ صرف رشوت کی پیشکش کی گئی دباءو ڈالا گیا اور تعاون نہ کرنے کی صورت میں سنگین نتاءج کی دھمکیاں بھی دی گئیں جن کو میں نے سختی سے رد کرتے ہوئے حق پرقائم رہنے کا عزم کیا اورفیصلہ قانون کے مطابق کیا ، فیصلہ دباءو یا لالچ میں دیتا تو ایک کیس میں سزا اور دوسرے میں بری نہ کرتا، مختلف مواقع پر ہوئی گفتگو کو توڑ مروڑ کر پیش کیا گیا، ناصربٹ اوراسکے بھائی سے پرانی شناسائی ہے عرصہ دراز سے کئی بارملتے رہے، خدا کو حاضر ناظر جان کر فیصلے کئے، الزامات جھوٹے، مریم نوازکی پریس کانفرنس فیصلوں کو متنازع بنانے اورسیاسی فوائد حاصل کرنے کیلئے تھی، ویڈیو جعلی اور جھوٹی ہے ملوث افراد کیخلاف قانونی کارروائی کی جائے ۔ اپنے چیمبر سے جاری ویڈیو کے حوالے سے اپنے وضاحتی بیان میں کہا کہ مجھ پر سنگین الزامات لگاکر میرے ادارے، میری ذات اور میرے خاندان کی ساکھ کو متاثر کرنے کی سازش کی گئی ہے ۔ یہ پریس کانفرنس محض میرے فیصلوں کو متنازع بنانے اور سیاسی فوائد حاصل کرنے کیلئے کی گئی ہے، اس میں دکھائی گئی ویڈیو جھوٹی، جعلی اور مفروضی ہیں ، لہذا اس میں ملوث افراد کے خلاف قانونی چارہ جوئی کی جانی چاہئے ۔ دوسری جانب وزیر اعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ حکومت نے آڈیواورویڈیوکا فرانزک ٹیسٹ کرانے کافیصلہ کیاہے،آڈیو،ویڈیوکی تحقیقات حکومت کرے گی، چورمچائے شورکے بیانیہ کونہیں چلنے دیں گے،روایتی ہتھکنڈے استعمال کرتے ہوئے معزز جج پرانگلیاں اٹھائی گئیں ،کسی بھی جج کو اسکینڈلائز کرنے پرقانونی کارروائی ہوسکتی ہے، آڈیو،ویڈیوکے مشکوک کردارکوبے نقاب کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے،بے نامی راجکماری کاکرداربھی سامنے لانا ضروری ہے ۔ مریم صفدر آج ہاتھ اٹھا اٹھا کر بے گناہی ثابت کر رہی ہیں ، لیکن عدالت میں اپنی بے گناہی ثابت نہیں کر سکیں ، آپ سرخرو ہونا چاہتے ہیں تو لائیں اپنے بھائیوں اور اپنے رشتہ داروں کو ، مریم نوا زشریف نے ویڈیو آڈیو ٹیپ کا ڈرامہ رچایا ہے ، وہ ڈرامہ بھر پور طریقے سے فلاپ ہو گیا ۔ ادھر وزیر اعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ آڈیو، ویڈیوکی تحقیقات حکومت کرے گی، چورمچائے شورکے بیانیہ کونہیں چلنے دیں گے،روایتی ہتھکنڈے استعمال کرتے ہوئے معزز جج پرانگلیاں اٹھائی گئیں ،کسی بھی جج کو اسکینڈلائز کرنے پرقانونی کارروائی ہوسکتی ہے،آڈیو،ویڈیوکے مشکوک کردارکو بے نقاب کرنا حکومت کی ذمے داری ہے، اپوزیشن کی رہبر کمیٹی نہیں رہزن کمیٹی ہے ،سیاست کے12ویں کھلاڑی کی خواہش پر اے پی سی کرائی گئی،ان تلوں میں تیل نہیں ،یہ تنکے کا سہاراتلاش کررہے ہیں ،یہ لانگ مارچ یا ڈبل ٹرپل مارچ کریں ،کسی اقدام سے دلچسپی نہیں ۔ ایک قابل احترام جج پر انگلیاں اٹھائی گئیں ، آڈیو ویڈیو ٹیپ بنانے اور چلانے والے کردار سند یافتہ جھوٹے ہیں ۔ حکومت مریم صفدرکے الزامات کو منطقی انجام تک پہنچائے گی ۔ یہ بات انتہائی اہم ہے کہ اگر یہ ویڈیو محض اسکینڈلائز ہے تو اس کے کرداروں کو منطقی انجام تک پہنچنا ضروری ہے کیونکہ یہ ایک ایسے اہم ترین ادارے سے متعلق ہے کہ جہاں پر انصاف فراہم ہوتا ہے اور اس پر انگشت نمائی کرنا کوئی چھوٹی بات نہیں ۔

امریکہ طالبان مذاکرات ، مثبت پیشرفت کا امکان

قطر کے دارالحکومت دوحہ میں افغانستان میں 18 سال سے جاری جنگ کے خاتمے کیلئے افغان اور طالبان وفود کے مذاکرات جاری ہیں ۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق افغان اور طالبان نمائندوں کے اجلاس میں 70 افراد شامل ہیں ۔ کانفرنس روم میں داخل ہونے سے قبل تمام افراد کے موبائل فونز انتظامیہ کے حوالے کئے گئے ۔ جرمنی کے نمائندہ خصوصی برائے افغانستان اور پاکستان مارکس پوٹزل نے کہا یہاں کچھ روشن خیال ذہن موجود ہیں جو افغان معاشرے کے ایک حصے کی نمائندگی کررہے ہیں ۔ آپ سب کے پاس پر تشدد کشیدگی کو ایک پر امن مباحثے میں بدلنے کے طریقے تلاش کرنے کا ایک منفرد موقع اور ذمہ داری ہوگی ۔ طالبان کے دوحہ آفس کے ترجمان سہیل شاہین سمیت وفد نے مذاکرات سے قبل کانفرنس روم میں اپنی نشستوں پر پہنچے ۔ قطری وزات خارجہ کے نمائندہ برائے انسداد دہشت گردی مطلق القحطانی نے کہا کہ ہم تمام افغان بھائیوں اور بہنوں کی دوحہ میں ملاقات پر بہت خوش ہیں ۔ افغان اور طالبان وفود کو ثالثیوں کی موجودگی میں مذاکرات کے لیے تنہا چھوڑنے کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم افغانستان کے مستقبل کی راہ کا تعین کرناچاہتے ہیں ۔ سابق صدر حامد کرزئی کی جانب سے طالبان کے ساتھ بات چیت کےلیے تشکیل کردہ اعلیٰ امن کونسل کی رکن اصیلہ وردک نے بتایا کہ ہر کوئی جنگ بندی پر غور کررہا ہے ۔ اصیلہ وردک نے مزید کہا کہ عباس استانکزئی نے خواتین کے کردار، معاشی ترقی اور اقلیتوں کے کردار پر طالبان کے موقف سے متعلق بات چیت کی ۔

وزیراعظم کا دورہ امریکہ، تعلقات کی نئی راہیں کھلیں گی

وزیراعظم پاکستان کا 22 جولائی کو امریکہ کا دورہ انتہائی اہمیت کا حامل ہوگا اس دورے سے پاک امریکہ تعلقات کی نئی راہیں کھلیں گی ۔ کیونکہ دونوں ممالک ایک دوسرے کیلئے لازم و ملزوم ہیں ، اگر دنیا میں امریکہ کی اہمیت ہے تو پاکستان بھی 22کروڑ لوگوں پر مشتمل ایک ایٹمی قوت ہے ۔ امریکہ بھی پاکستان کی اہمیت سے بخوبی واقف ہے کہ خطے میں اگر اس نے چلنا ہے تو پاکستان کی مدد کے بغیر ناممکن ہے ۔ ترجمان دفتر خارجہ نے کہاکہ کشمیر کے بغیر بھارت سے کسی صورت بات نہیں ہوگی ۔ پاکستان نے ہمیشہ مسئلہ کشمیر کو اٹھایا چاہے کوئی بھی فورم ہو پاکستانیوں اور کشمیریوں کے دل ایک ساتھ دھڑکتیں ہیں ، بھارت جتنے مرضی ظلم کرلے وہ کشمیریوں کو دبا نہیں سکتا اور ان کی آزادی کی نوید انتہائی قریب ہے، بھارت کو بھی یہ نوشتہ دیوار پڑھ لینا چاہیے ۔

ٹیم میں گروپ بندی کی خبریں درست نہیں، عماد وسیم

اسلام آباد: قومی ٹیم کے آل راؤنڈر عماد وسیم کا کہنا ہے کہ سرفراز احمد کی کپتانی سے استعفی کا معاملہ کرکٹ بورڈ اور سلیکشن کمیٹی کا ہے۔ 

اسلام آباد میں قومی ٹیم کے اسپنرز عماد وسیم اور شاداب خان نے مشترکہ پریس کانفرنس کی اس موقع پر عماد وسیم نے کہا کہ کھیل میں ہار جیت ہوتی رہتی ہے، ٹیم میں گروپ بندی کی خبریں درست نہیں، ہم ٹیم ورک کے طور پر کھیلے جب کہ میچ کے دوران کوچ کا کردار کم ہوتا ہے، کھلاڑی نے ہی پرفامر کرنا ہوتا ہے اور کپتان اور کھلاڑی فیصلہ کرتے ہیں۔

عماد وسیم کا کہنا تھا کہ عمران خان بڑے سوچ کے مالک ہیں لیکن ہمیں ورلڈکپ کے دوران وزیراعظم کا کوئی پیغام نہیں آیا اور بھارت کے خلاف میچ کو ہماری قوم جنگ کی طرح لیتی ہے، بھارت سے شکست کے بعد ہم پر بہت دباؤ تھا،  سرفراز احمد نے بھارت کے میچ کے بعد خود میٹنگ بلائی تھی جس میں سرفرازنے کہا ہمیں ٹورنامنٹ میں کم بیک کرنا ہے۔

عماد وسیم نے کہا کہ رن ریٹ کا ایشو تھا لیکن پہلا میچ ہم بری طرح ہارے تھے اور میں قسمت کے بجائے محنت پر یقین رکھتا ہوں، افغانستان کے خلاف میچ میں شائقین کو تحمل کا مظاہرہ کرناچا ہیے تھا۔ ایک سوال کے جواب میں آل راؤنڈر نے کہا کہ سرفراز احمد کی کپتانی سے استعفی کا معاملہ کرکٹ بورڈ اور سلیکشن کمیٹی کا ہے۔

دوسری جانب شاداب خان کا کہنا تھا کہ انڈیا کے خلاف میچ ہارنے سے ہمیں افسوس ہے۔

پاکستان کا مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق صورتحال پر اقوام متحدہ کی رپورٹ کا خیرمقدم

اسلام آباد: پاکستان نے اقوام متحدہ کے انسانی حقوق ہائی کمشنر کی مقبوضہ کشمیرسے متعلق دوسری رپورٹ کا خیرمقدم کیا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل کے مطابق پاکستان نے اقوام متحدہ کے انسانی حقوق ہائی کمشنر کی مقبوضہ کشمیرسے متعلق دوسری رپورٹ کا خیرمقدم کیا ہے جس میں کشمیریوں کے حق خود ارادیت کے احترام پر زور دیا گیا ہے۔

ترجمان دفترخارجہ کا کہنا ہے کہ ہائی کمشنر کی مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی تحقیقات کیلئے انکوائری کمیشن کے قیام کی سفارش کا خیر مقدم کرتے ہیں، رپورٹ میں پیلٹ گنز کے استعمال سمیت قابض افواج کی بربریت کا حوالہ دیا گیا۔ ترجمان دفترخارجہ نے یہ بھی کہا کہ مقبوضہ کشمیر اور آزاد کشمیر و گلگت بلتستان کے حالات میں کوئی مماثلت نہیں۔

ترجمان دفترخارجہ کے مطابق مقبوضہ کشمیر دنیا میں سب سے زیادہ عسکری مداخلت والا خطہ ہے جب کہ آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان غیر ملکی سیاحوں کیلئے کھلے ہیں، مسئلہ کشمیر کا واحد حل عوام کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حق خود ارادیت دینا ہے۔

اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کی کونسل نے کشمیر پر 2019 کی رپورٹ جاری کی ہے جس کی تیاری میں مقبوضہ کشمیر کی تنظیم جموں کشمیر کولیشن سول سوسائٹی (جے کے سی سی ایس) نے اہم کردار ادا کیا۔

رپورٹ کے مطابق بھارتی فوج مقبوضہ کشمیر میں غیر قانونی حراست اور جبری ہتھکنڈے استعمال کرتی ہے، 2018 میں 160 لوگوں کو شہید اور 1253 کو نابینا کیا گیا، بھارتی حکومت کی جانب سے کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں میں بے انتہا اضافہ ہوا ہے جس پر شدید تشویش ہے۔

چینی جنگجو لڑکی ’مولان‘ کی تلوار بازی دیکھ کر دنیا دنگ

آنے والی ہولی وڈ اینیمیٹڈ لائیو ایکشن فلم ’مولان‘ کا پہلا ٹریلر جاری کردیا گیا، جسے دیکھتے ہی لوگ دنگ رہ گئے۔

’مولان‘ لائیو ایکشن اینیمیٹڈ فلم دراصل 1998 میں ریلیز ہونے والی فلم ’مولان‘ کا ریمیک ہے اور یہ فلم چین کی جنگجو خاتون کی بہادری کے گرد گھومتی ہے۔

ڈزنی اسٹوڈیو نے فلم بنانے کا اعلان 2016 میں کیا تھا، تاہم ڈزنی اسٹوڈیو کو فلم کی ہیروئن ڈھونڈنے میں سخت مشکلات درپیش آئیں۔

ڈزنی اسٹوڈیو نے ہیروئن کو دنیا کے پانچ بر اعظموں اور ایک ہزار لڑکیوں کے اوڈیشن کے بعد چینی اداکارہ لیو یفائے کو مرکزی کردار کے لیے منتخب کیا تھا۔

’مولان‘ لائیو ایکشن کی ہدایات نکی کیرو نے دی ہیں جب کہ اس کی کہانی رک جفا، امنڈا سلور، ایلزبیتھ مارٹن اور لارین ہارنک کی لکھی گئی تاریخی نظم سے لی گئی ہے۔

فلم کی کہانی ’مولان‘ نامی چینی جنگجو لڑکی کے گرد گھومتی ہے، جو چین کی حقیقی جنگجو خاتون تھیں۔

ٹریلر دیکھ کر شائقین نے اداکارہ کی تعریف کی—اسکرین شاٹ
ٹریلر دیکھ کر شائقین نے اداکارہ کی تعریف کی—اسکرین شاٹ

فلم کی کہانی پانچویں صدی میں چین کی مارشل آرٹ کی ماہر اور جنگجو خاتون ’ہوا مولان‘ کی زندگی کے گرد گھومتی ہے، جنہوں نے 25 سال تک مختلف جنگیں لڑیں۔

ہوا مولان سے متعلق کہا جاتا ہے کہ وہ چینی مارشل آرٹ کے مختلف اسٹائل کی ماہر تھیں۔

فلم کے مختصر دورانیے کے ٹریلر میں چینی اداکارہ لیو یفائے کو چینی جنگجو لڑکی کے کردار میں ڈھلتے ہوئے اور دشمنوں کو تلواروں سے زیر کرتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔

ٹریلر میں دکھایا گیا ہے کہ ہوا مولان کی گھر میں ہی ایسی تربیت کی جاتی ہے کہ وہ جوان ہوکر جنگجو بن جاتی ہیں اور حریفوں کو سبق سکھاتی ہیں۔

لیو یفائے نے 2004 میں اداکاری کی شروعات کی—فوٹو: ہارپر بازار
لیو یفائے نے 2004 میں اداکاری کی شروعات کی—فوٹو: ہارپر بازار

ڈزنی اسٹوڈیو نے فلم کو ریلیز کرنے کی تاریخ کا اعلان نہیں کیا، تاہم بتایا گیا ہے کہ فلم کو آئندہ برس موسم بہار میں ریلیز کیا جائے گا۔

خیال رہے کہ ’مولان‘ کے لیے منتخب کی گئی چینی اداکارہ لیو یفائے کو ’کریسٹل لیو‘ کے نام سے بھی جانا جاتا ہے، وہ اداکاری کے علاوہ ماڈلنگ و گلوکاری بھی کرتی ہیں۔

2004 سے اداکاری کی شروعات کرنے والی لیو یفائے متعدد چینی فلموں میں مارشل آرٹ کی فائٹر خاتون کا کردار بھی ادا کرچکی ہیں۔

لیو یفائے نے 2008 میں ’دی فوربڈن کنگڈم‘ میں جیکی چن اور جیٹ لی کے ساتھ بھی کام کیا، جب کہ 2014 میں ’آؤٹ کاسٹ‘ میں بھی اداکاری کے جوہر دکھا چکی ہیں۔

,

اسٹاک ایکسچینج میں مندی، ڈالر اور سونے کی قیمت میں بھی اضافہ

کراچی: اسٹاک ایکسچینج میں شدید مندی کا رجحان رہا جب کہ ڈالر کی قدر بڑھنے کے بعد سونے کی قیمت میں بھی اضافہ ہوگیا۔

کراچی اسٹاک ایکسچینج میں شدید مندی کا رجحان رہا اور 100 انڈیکس34 ہزار کی نفسیاتی حد سے بھی گر گیا۔ مندی کے باعث 447 پوائنٹس کی کمی ریکارڈ ہوئی اور 100 انڈیکس کمی کے بعد 33 ہزار 742 کی سطح پر بند ہوا۔

دوسری جانب ڈالر کی قیمت بڑھنے اور روپے کی قدر گرنے کے بعد سونے کی قیمت کو بھی پر لگے ہوئے ہیں، اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں 50 پیسے اضافے کے ساتھ   157روپے 50 پیسے پر بند ہوا جب کہ انٹر بینک میں ڈالر کی قدر40 پیسے کے اضافے سے 157روپے 32پیسے کی سطح پر پہنچ گئی، ڈالر کی قدر بڑھنے کا اثر مقامی صرافہ مارکیٹوں میں بھی نظر آیا اور فی تولہ اور دس گرام سونے کی قیمت میں بالترتیب 650 روپے 558 روپے اضافہ ہوگیا۔

عالمی بلین مارکیٹ میں  بھی سونے کی فی اونس قیمت میں 5 ڈالر کا اضافہ ہوا اور عالمی مارکیٹ میں فی اونس سونے کی قیمت بڑھ کر 1405 ڈالر کا ہوگیا، جب کہ  کراچی، حیدرآباد، سکھر، ملتان، لاہور، فیصل آباد، راولپنڈی، اسلام آباد، پشاور اور کوئٹہ کی صرافہ مارکیٹوں میں فی تولہ سونے کی قیمت اضافے کے بعد 78 ہزار 650 روپے اور دس گرام سونے کی قیمت بڑھ کر 67 ہزار 430 روپے کی سطح پر آگیا۔

 

بلوچستان میں بھارتی ایجنٹ سرگرم

بلوچستان پاکستان کا وہ صوبہ ہے جو معدنیات سے بھرپور ہے ۔ پاکستان دشمنوں کی ہمیشہ سے یہ کوشش رہی ہے کہ اس صوبے کو پاکستان سے الگ تھلگ کر دیا جائے ۔ اسی لیے امریکہ کے ورلڈ آرڈر میں عظیم تر بلوچستان پاکستان سے الگ ایک خود مختیار مملکت دکھایا گیا ہے ۔ امریکی خفیہ ایجنسیاں ، را اور موساد کے تعاون سے بلوچستان میں وفاق اور پاک فوج کے خلاف نفرت پھیلا کر اس صوبے میں مشرقی پاکستان جیسے حالات پیدا کرنا چاہتی ہیں تاکہ کوئی شورش پیدا ہو ۔ پاکستان نے اپنے ایٹمی تجربات بھی بلوچستان کے پہاڑوں میں کئے تھے ۔ اسی وقت سے را اور سی آئی اے کے ایجنٹ بلوچستان میں سرگرم ہوگئے کہ وہ بلوچستان میں جوہری اثاثوں کا سراغ لگانا چاہتے تھے ۔ اصل میں ایٹمی پاکستان کا وجود امریکہ ، بھارت اور اسرائیل تینوں کی آنکھوں میں کھٹکتا ہے ۔ یہ امر افسوسناک ہے کہ بعض عناصر پاکستان میں رہتے ہیں ، پاکستان کا دیا ہوا کھاتے ہیں اور وطن عزیز کے خلاف زہر اگلنے میں مصروف رہتے ہیں ۔ وہ بڑی ڈھٹائی اور بے شرمی کے ساتھ وطن عزیز کی سالمیت کے خلاف مذموم پروپیگنڈہ کرتے رہتے ہیں ۔ پاکستان کے منحرف شدہ بلوچ لیڈر بھارتی خفیہ ایجنسی ’’را‘‘ سے رابطے میں ہیں اور پاکستان میں قومیتوں کے نام پر چھوٹی چھوٹی ریاستیں بنانے کے عزائم رکھتے ہیں ۔ انتہا پسند ہندو تنظی میں اور بھارتی ادارے موقع سے فائدہ اٹھاتے ہوئے پاکستان میں تخریب کاری کو ہوا دینے کی کوشش کررہے ہیں ۔ قندھار کے گورنر نے یہ اعتراف کیا کہ قندھار میں بلوچ قوم پرست باغی موجود ہیں اور بھارتی خفیہ ایجنسی ’’را‘‘ سے ان کا مسلسل رابطہ ہے ۔ یہ صورتحال بالکل ویسی ہی ہے جیسے مشرقی پاکستان میں تھی ۔ وہاں بھی کچھ مقامی لیڈروں اور لوگوں کو بہکا کر اور خرید کر بھارت نے پاک فوج اور پاکستان کے خلاف نفرت پھیلائی تھی ، اب یہی کھیل بلوچستان میں کھیلا جا رہا ہے ۔ بدنام زمانہ بلیک واٹر نے پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کرنے کےلئے بلوچستان میں اپنے ایجنٹ داخل کر دیئے ہیں ۔ بلوچستان بارے سی آئی اے اور بلیک واٹر کے عزائم بہت خطرناک ہیں ۔ بلوچستان میں بیٹھ کر وسطی پنجاب اور شمالی علاقہ جات میں خود کش حملے اور بم دھماکے کرائے جائیں ۔ یوں دنیا کو باور کرایا جا سکے کہ پاکستان جو ایٹمی طاقت بھی ہے ،بدنظمی کا شکار ہے ۔ اس پروپیگنڈہ کے بعد پاکستان کے ایٹمی اثاثوں پر قبضہ کرنا ان کا مقصد ہے ۔ وزیر اعظم پاکستان نے کئی مرتبہ اپنے بھارتی ہم منصب کو بلوچستان میں بھارتی مداخلت کے ثبوت فراہم کئے ہیں اور ان سے اس سلسلے میں پر زور احتجاج بھی کیا ہے مگر بھارت کو امریکہ کی شہ حاصل ہے ۔ بھارت تو ویسے بھی ہمارا دیرینہ دشمن ہے ۔ اسی دشمنی کے تحت سازش کے ذریعے اس نے ہمارے ایک حصے کو الگ کیا اور اب وہ اسی ڈگر پر چلتے ہوئے دوسرے حصے کو بھی علیحدہ کرنے کے درپے ہے ۔ جب ملک میں سندھی ، پنجابی ، پختون ،بلوچی اور بنگالی کی تفریق پیدا ہوئی تو ملک دو لخت ہوا ۔ اب باقی ماندہ ملک اور خصوصاً بلوچستان کو بچانے کےلئے ہ میں لسانیت سے باہر نکل کر خود کو دوبارہ ایک قوم کے قالب میں ڈھالنا ہوگا ۔ پاکستان برادر اسلامی ملک ہونے کے ناطے افغان حکومت کی مشکلات میں اضافہ نہیں کرنا چاہتا مگر افغان حکومت جو کہ امریکی و اتحادی افواج کےلئے کٹھ پتلی سے زیادہ حیثیت نہیں رکھتی پاکستان کی قومی سلامتی اور داخلی استحکام کےلئے شدید ترین مسائل پیدا کررہی ہے ۔ جس میں سب سے زیادہ اہم افغانستان میں بھارتی سفارتخانہ اور متعدد قونصل خانے ہیں جہاں دہشت گردوں اور تخریب کاروں کو تربیت دےکر پاکستان بھیجا جاتا ہے ۔ بھارت کی خواہش ہے کہ پاکستان اسے افغانستان کےلئے تجارتی راستہ دے اور افغانستان میں تعمیر نو کے نام پر افغان منڈی اور وسائل پر قبضہ کرنے کا موقع فراہم کرے ۔ بھارت کو یہ علم ہے کہ سینٹرل ایشیا کے وسائل تک رسائی افغانستان کے زمینی راستے کے ذریعے ہی ممکن ہے ۔ بھارت کی سرتوڑ کوشش رہی ہے کہ وہ افغانستان میں اپنا اثرو رسوخ مزید بڑھائے ۔ اسی خیال کے پیش نظراس نے افغان انتظامیہ کے ساتھ بڑھ چڑھ کر تعاون کیا ۔ اب جبکہ بھارت افغانستان میں اپنے قدم جما چکا ہے تو اس کےلئے پاکستان میں تخریب کاری کرنا آسان ہوگیا ہے ۔ اس وقت صورتحال یہ ہے کہ افغانستان پر بھارت کا اثرو رسوخ زیادہ ہے ۔ پاکستان اگر سوویت افواج کے خلاف کھڑا نہ ہوتا تو آج افغانستان سوویت روس کی ایک ذیلی اور کٹھ پتلی ریاست بن چکا ہوتا اور اس ملک کا اسلامی تشخص، اس کی ثقافتی روایات اور اس کا تاریخی ورثہ سب کچھ تہس نہس ہو چکا ہوتا ۔ پاکستان کے اس عظیم الشان کردار کی وجہ سے ہی افغانستان سوویت یونین کے چنگل میں آنے سے بچ گیا لیکن خود پاکستان نے ان گنت مصائب مول لے لئے ۔ تخریب کاری اور دہشت گردی کی لہر نے پاکستان کا امن غارت کر کے رکھ دیا ۔ لیکن یہ بھی ایک حقیقت ہے کہ افغان حکومت نے ہمیشہ پاکستان دشمن قوتوں کا ساتھ دیا ۔ پاکستان کو نقصان پہنچانے ، تخریب کاری اور دہشت گردی کےلئے افرادی قوت، اسلحہ ، گولہ بارود افغانستان کے راستے ہی پاکستان میں داخل کیا جاتا ہے اور افغان حکومت کے تعاون کے بغیر یہ ممکن نہیں ۔ یہ کیسے ہو سکتا ہے کہ کوئی آپ کی اجازت کے بغیر آپ کے گھر میں سے گزر کر کسی اور گھر میں گھس جائے ۔ اب حالات بہت بگڑ چکے ہیں اور افغان حکومت کی دیدہ دلیری ناقابل برداشت ہوتی جا رہی ہے جس کی وجہ سے صوبہ پختونخواہ اور بلوچستان کے غیور عوام غم و غصے میں مبتلا ہیں اور یہ غم و غصہ کسی وقت بھی قابوسے باہر ہو سکتا ہے ۔ ہ میں افغان حکومت کو اپنی حدود میں رہنے کی تلقین کرنی چاہیے بلکہ افغان پالیسی پر نظر ثانی میں بھی مزید تاخیر نہیں کرنی چاہے ۔ اگر ہم نے خصوصاً بلوچستان میں مداخلت پر اب بھی خاموشی اختیار کی تو بھارت کے حوصلے بڑھ جائیں گے ۔ افغان حکومت کے منافقانہ رویے کی وجہ سے پاکستان کی طرف سے افغانستان کےلئے خیر سگالی اور تعاون کے تمام اقدامات بے نتیجہ ثابت ہو رہے ہیں ۔

Google Analytics Alternative