Home » 2019 » July » 09 (page 2)

Daily Archives: July 9, 2019

عمران خان کی حکومت چار سے پانچ ماہ میں جانے والی ہے، آصف زرداری

اسلام آباد: سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ عمران خان کی حکومت جا رہی ہے جبکہ ڈالر کی قیمت جس طرح بڑھ رہی ہے لگتا ہے دو سو تک جائے گا۔

اسلام آباد میں قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے صنعت و پیداوار کا اجلاس ہوا جس میں آصف علی زرداری نے پروڈکشن آرڈرز پر شرکت کی۔

حکام صنعت و پیداوار نے بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان اسٹیل ملز تین سال سے بند پڑی ہوئی ہے، اسے نجی شعبہ کے حوالے کرنے کی تجویز ہے

سیکرٹری پیداوار نے کہا کہ وزیراعظم چاہتے ہیں کہ اسٹیل ملز کو مکمل طور پر فروخت نہ کیا جائے، اس کا انتظام نجی شعبے کو دیا جائے مگر اکثریتی شیئرز اپنے پاس رہیں، اسٹیل ملز کو اس حال تک پہنچانے والوں کا احتساب ہونا چاہیے۔

سابق صدر آصف زرداری نے کہا کہ اسٹیل ملز سندھ کا اثاثہ ہے، اس کی زمین کی ہی مالیت بہت زیادہ ہے، اسے سندھ حکومت کو دیا جا سکتا ہے اور چینی سرمایہ کاروں کی مدد سے چلایا جا سکتا ہے، اسے پبلک پرائیویٹ شراکت داری کے تحت چلایا جائے، جو بھی سرمایہ کاری کرے گا ڈالر کی قیمت کو دیکھ کر ہی کرے گا، ڈالر کی قیمت جس طرح بڑھ رہی ہے لگتا ہے دو سو تک جائے گا۔

بعدازاں آصف زرداری نے پارلیمنٹ کیفے ٹیریا میں صحافیوں سے غیر رسمی بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ خبر یہ ہے کہ عمران خان کی حکومت جا رہی ہے، تاہم حکومت جانے میں چار سے پانچ مہینے لگیں گے، یہ لوگ کب جائیں اور کتنے دن بعد جائیں اس کے لیے جدوجہد جاری ہے، ان کے بعد سیاسی قوتیں آئیں گی، مستقبل بلاول بھٹو زرداری اور مریم نواز کا ہے۔

سابق صدر نے کہا کہ پروڈکشن آرڈر جاری نہ کرنا پارلیمانی روایات کے خلاف ہے، حکمران جتنا پارلیمنٹ کو کمزور کریں گے خود صلہ پائیں گے، سیاسی لوگوں کے خلاف کارروائی ہو رہی ہے جس میں صحافیوں کا بھی نام ہے، میں اسے سول مارشل لاء کہوں گا۔

آصف زرداری کا کہنا تھا کہ سیاست میں ہم سے بھی غلطیاں ہوئیں ہیں لیکن کوشش ہوگی آئندہ ایسا نہ ہو، اپوزیشن جماعتیں آئندہ ہوشیار رہیں گی اور آپس میں نہیں لڑیں گی، ہماری کمزوریوں کا نتیجہ اور انعام ہی عمران ہے، حکومت مزید 30 ارب ڈالر قرض لینے جا رہی ہے جو تشویشناک ہے، پہلے ہم نے چین اور دوست ممالک سے قرضے لئے، اب جن سے قرضے لے رہے ہیں وہ ہمارے جہاز بھی روک لیں گے اور سفارت خانے بھی ضبط کر لیں گے، ہمارے وزیر خزانہ حفیظ شیخ کو حالات کا ادراک ہی نہیں ہے، موٹر ویز تک تو گروی پڑی ہیں اب یہ خود کو ہی گروی رکھوائیں گے۔

آصف زرداری نے کہا کہ میں نے ٹی وی انٹرویو میں عمران خان کے لندن میں اسکینڈل کے بارے میں بات کی تھی، میری نظر میں وزیراعظم کا بہت بڑا اسکینڈل آنے والا ہے، ہوسکتا اس وجہ سے میرا انٹر ویو نہ چلنے دیا گیا ہو۔

ضیاء الحق کے اوپننگ بیٹسمین راجہ ظفرالحق کو چیئرمین سینیٹ قبول کرنے سے متعلق سوال کے جواب میں آصف زرداری نے کہا کہ یہ سوال مجھ سے نہیں مریم نواز سے پوچھا جائے گا، سینیٹ میں اکثریت ن لیگ کی ہے، ہو سکتا ہے نیا چئیرمین ان کا ہی ہو۔

آصف زرداری نے مزید کہا کہ میں نے احتساب عدالت کے جج کی ویڈیو نہیں دیکھی، میں شروع دن سے کہہ رہا ہوں کہ میاں نواز شریف کی صحت خراب ہے، انہیں کم از کم گھر میں نظر بند کیا جائے، انشاء اللہ 2019 بلاول بھٹو زرداری کی شادی کا سال ہے۔

گوگل کروم میں کارآمد فیچر کی آزمائش

گوگل بہت جلد کروم براﺅزر میں ایک نئے بٹن کا اضافہ کرنے والا ہے جس کی بدولت کسی بھی ٹیب میں ویڈیو کو پلے یا پوز کرنا ممکن ہوجائے گا۔

زی ڈی نیٹ کی رپورٹ کے مطابق کروم کے بیٹا یا Canary ڈویلپمنٹ ورژن میں ایک نیا فیچر سامنے آیا ہے جسے گلوبل میڈیا کنٹرول کا نام دیا گیا ہے۔

جب یہ فیچر تمام صارفین کے لیے ان ایبل ہوجائے گا تو یو آر ایل کے برابر میں بک مارک اسٹار کے ساتھ ایک پلے آئیکون اس وقت نظر نظر آنے لگے گا جب آپ نے کسی ٹیب میں کوئی ویڈیو پلے کی ہوئی ہو۔

==

اس آئیکون پر کلک کرنے پر ایک بڑا کنٹرول پوپ اپ ونڈو کی شکل میں نظر آئے گا جو ویڈیو پلے، فارورڈ/ بیک ورڈ یا پوز کرنے میں مدد دے گا اور اس کے لیے ویڈیو والی ٹیب اوپن کرنے کی ضرورت نہیں ہوگی۔

یہ بظاہر معمولی فیچر لگتا ہے مگر اس وقت بہت کارآمد ہوگا جب کسی آٹو پلے ویڈیو کو روکنا ہوگا یا کسی دوسرے ٹیب سے یوٹیوب ویڈیو کو کنٹرول کرنا ہوگا۔

یہ فیچر اس لیے بھی خوشگوار اضافہ ہے کیونکہ گوگل نے حال ہی میں اسپیکر آئیکون کو کلک کرکے میوٹ کرنے کی سہولت ختم کردی ہے، تاہم ٹیب پر رائٹ کلک کرکے کسی سائٹ کو مستقل میوٹ کیا جاسکتا ہے۔

یہ نیا گلوبل میڈیا فیچر آڈیو اور ویڈیو دونوں کو کنٹرول کرنے میں مدد دے گا اور بظاہر یوٹیوب کے لیے کام کرے گا، تاہم عام دستیابی کے بعد اندازہ ہوگا کہ کتنی ویب سائٹس پر یہ کام کرے گا۔

ویسے اس فیچر کو آزمانے کے لیے آپ گوگل کروم Canary براﺅزر یہاں سے ڈاﺅن لوڈ کریں اور پھر chrome://flags/#global-media-controls پر جاکر اسے ان ایبل کردیں۔

بالی ووڈ سے فلموں کی آفرز ہوئی ہیں، عائزہ خان

کراچی: معروف ماڈل و اداکارہ عائزہ خان کا کہنا ہے کہ مجھے دھرما پروڈکشن سمیت بالی ووڈ کے بڑے پروڈکشن ہاؤسزکی جانب سے فلموں کی آفرز ہوئی ہیں۔

عائزہ خان نے ایک ویب سائٹ کو انٹرویو میں بتایا کہ جب میں نے اپنا کیریئر شروع کیا تو مجھے بلکل بھی اندازہ نہیں تھا کہ میں آج اپنی مقبولیت کو اس طرح انجوائے کروں گی۔ مجھے خوشی ہے کہ لوگ مجھ سے محبت کرتے ہیں اور یہ دیکھ کر بھی مجھے خوشی ہوتی ہے کہ آج بہت سی لڑکیوں کے لئے میں ایک مشعل راہ ہوں، لوگ میرا ہیر اسٹائل ،میک اپ، لباس اور یہاں تک کہ اپنی بیٹیوں کا نام میرے نام پر رکھتے ہیں۔

عائزہ خان نے پاکستانی فلموں میں کام کرنے سے متعلق بتایا کہ میں نے ڈراموں کے ساتھ اپنے لئے تمام راستے کھلے رکھے ہیں۔ اور جہاں تک بات فلم نہ کرنے کی ہے تو اُس کی اصل وجہ بہترین اسکرپٹ ہے جس کا مجھے انتظار ہے، میں ایسے اسکرپٹ کی تلاش میں ہوں جہاں میں آسانی سے فٹ ہو سکوں، میں خود بھی فلم کرنا چاہتی ہوں اور اگر مجھے اچھی فلم کی آفر ہوئی تو میں ضرور سائن کرلوں گی۔

عائزہ خان نے بالی ووڈ میں کام کی آفر کے حوالے سے لب کشائی کرتے ہوئے کہا کہ میرے لئے خوشی کی بات ہے کہ مجھے بالی ووڈ کے بڑے بڑے پروڈکش ہاؤسز کی جانب سے فلموں میں کام کرنے کی آفرز بھی ہوئیں جس میں کرن جوہر کا دھرما پروڈکشن ہاؤس بھی ایک ہے۔

اداکارہ نے یہ بھی کہا کہ حتمی طور پر کوئی فیصلہ نہ ہونے کی وجہ سے بالی ووڈ کی آفر کا چرچہ میں نے کبھی نہیں کیا۔ لیکن جب بھی موقع ملا تو میں ضرور فلم کرنا پسند کروں گی لیکن اس میں میری شرائط اور اخلاقی اقدار کی حدود شامل ہوں گی۔ کیوں کہ بطور اداکارہ اور پاکستانی ہونے کی وجہ سے فخر کی بات ہے کہ دنیا بھر میں لوگ ہمارے کام کو سہرا رہے ہیں۔

شہادتِ برہان مظفر وانی ۔ ایک دلپذیر سبق

وقت کو پل پل گزارنا کسی قیامت سے کم نہیں ہوتا اور ایسے قیمتی اور بیش بہا وقت کی گھڑیاں جو اپنے پیاروں راج دلاروں اور جگر کے ٹکڑوں کی کبھی نہ فراموش ہونے والی یادوں میں بسرہوتی ہوں اپنی انگلیوں پر تین برسوں کے بیتے ہوئے وقت کی اْن گھڑیوں کا ذرا شمار تو کیجئے کل جولائی کی 8 تاریخ تھی تین برس بیت چکے ہیں آج سے تین برس قبل مقبوضہ جموں وکشمیرپر گزشتہ ستربرسوں سے قابض بھارتی فوج نے نوجوان کشمیری حریت پسندوں کے ایک دستہ کو شب کی تاریکی کا فائدہ اْٹھاتے ہوئے اپنے گھیرے میں لے لیا تھا بجائے اْن سے ہتھیار ڈالنے کا کہا جاتا اْن پراندھادھند بھاری مشین گنوں کی بوچھاڑ کھول دی گئی یوں اْن ہی لمحات میں آزادی کشمیر کا مقبول ہیرو کشمیریوں کی دلوں کی دھڑکن عظیم مزاحمت کارآزادی کشمیر کا پروانہ برہان وانی اْن بھارتی فوجی درندوں کا دیوانہ وار مقابلہ کرتے ہوئے شہید ہوگیا کل 8 جولائی کو شہید برہان وانی کی شہادت کی تیسری برسی پاکستان، آزاد جموں وکشمیر اور دنیا بھر میں جہاں جہاں بھی کشمیری بستے ہیں اْنہوں نے کل کا دن شہید برہان احمد وانی کی دلیرانہ شہادت کو زبردست خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے گزارا ہے اس موقع پر راقم کی نظر محمد عبداللہ گل نامی ایک قلم کار کی ایک ایسی دل پذیر تحریر پر پڑی، جسے پڑھنے کے بعد اْس تحریر کو ہم نے یہاں جوں کا توں نقل کردیا ہے اور ہم اْن کے شکرگزار بھی چونکہ بات شہید برہان مظفروانی کے تذکرہ پر ہورہی ہے راقم کی خواہش ہے کہ زیرنظر کالم کے اس عنوان پر غورفرمائیں جسے ہم نے محمد عبداللہ گل کے تحریرکردہ مکالمہ سے اپنے کالم کے لئے چنا ہے برہان مظفر وانی کشمیر کا وہ نوجوان بیٹا تھا جس نے آزادی حاصل کرنے کے لیے اپنی جان قربان کر دی برہان وانی نے اس بات کا ثبوت دیا کہ وہ آزادی پسند نوجوان ہے ۔ کشمیر میں انڈین آرمی کے مظالم انتہا کو پہنچ چکے ہیں ۔ دن بدن کسی نہ کسی مسلمان کو شہید کر دیا جاتا، انڈین آرمی والی مسلمان بیٹیوں کی عزتیں لوٹتے ۔ ظالم بچوں کو بھی نہ بخشتے ۔ بچوں کی آنکھوں میں پیلٹ گن کے چھرے مار مار کر ان کی بینائی چھین لی جاتی ہے انہیں مظالم کی دوران ایک بچے نے وادی کشمیر میں جنم لیا ۔ انہیں مظالم میں پرورش پائی کبھی وہ دیکھتا کہ کشمیر کی کسی بیٹی کی عزت لوٹ لی غاصبوں نے ،کبھی وہ سنتا فلاں بھا ئی کو شہید کر دیا گیا ۔ کبھی وہ سنتا کہ امام مسجد کو روڈ پر شہید کر دیا گیا ۔ کبھی وہ سنتا کہ نماز جمعہ پر پابندی عائد کر دی گئی ہے ۔ کبھی وہ دیکھتا کہ قربانی کا موقع ہے اور گائیں ذبح کرنے پر پابندی ہے کبھی نماز پر پابندی ہے کبھی وہ سنتا کہ 22 کشمیری مسلمان اذان دیتے ہوئے شہید ہو گئے ان سب مظالم کو دیکھ کر اس کا دل بیزار ہوتا تھا اللہ نے ہمت دی کہ آزادی پسند مجاہدین کشمیر میں شامل ہوا اپنی گن کے ذریعے انڈین آرمی کی نیندیں حرام کر دیں وہ ڈرنے لگے، مفکر پاکستان علامہ اقبال;231; نے ایسے ہی بزدلوں کےلئے فرمایا ہے

;3939;کافر ہے تو شمیشیر پہ کرتا ہے بھروسہ;3939;

;3939;مومن ہے تو بے تیغ بھی لڑتا ہے سپاہی;3939;

علامہ اقبال کی شاعری نے اس پراتنا اثر کیا اور وہ جہاد کی راہ پر نکل کھڑا ہوا درندہ صفت دشمنوں کے ساتھ جہاد کے لیے برہان وانی نے اپنی جان کی پرواہ تک نہ کی کیونکہ وہ باخبرتھا کہ بھارتی قبضے سے آزادی حاصل کرنے کے لیے اْس کی کشمیری قوم سات دہائیوں سے قربانیاں دے رہی ہے

;3939;ہے کس کی یہ جْرات کہ مسلمان کو ٹوکے;3939;

;3939;حْریّتِ افکار کی نعمت ہے خدا داد;3939;

انڈین میڈیا بھلے انھیں آتنک وادی جیسے نام دیتا اور کہتا رہے لیکن عظیم مجاہد برہان مظفر وانی شہید رحمتہ اللہ ہمارے تو ہیرو ہیں کیونکہ انہوں نے اپنی قیمتی جان اپنی قوم اپنی سرزمین کی آزادی حاصل کرنے کے لئے قربان کردی شہید وانی نے آزاد انسان ہونے کا اپنا فرض نبھایا قیام پاکستان سے اب تک کشمیریوں کی جانب سے اور پاکستان کی طرف سے بھارت کو کئی بار کہا گیا کہ کشمیر کے مسئلے کو پْرامن مذاکرات کے ذریعے سے حل کیا جائے نئی دہلی اقوام متحدہ میں کیا گیا اپنا عالمی عہد نبھائے کئی بارقرار دادیں منظور ہوئیں لیکن بھارت نے آج تک ان قرار دادوں کو نہ تو قبول کرتا ہے نہ اپنے ہی کیئے گئے عالمی وعدے کو پورا کرتا ہے مسئلہ کشمیر پر پاکستان کے ساتھ بھارت کی تین جنگیں ہوچکی ہیں لیکن وہ امن کے راستے پر نہیں آرہا تو پھر مسلمانوں نے وہ طریقہ اپنایا ;3939;جہاد فی سبیل اللہ کا;3939;جو بندے اللہ کی راہ میں جہاد کرتے ہیں اللہ کے ہاں وہ بڑے مقام و مرتبہ والے ہوتے ہیں جن کے بارے میں قرآن کریم میں اللہ تعالیٰ نے ارشاد فرمایا ہے کہ;34;جو لوگ ایمان لائے ہجرت کی اللہ کی راہ میں اپنے مال اور اپنی جان سے جہاد کیا وہ اللہ کے ہاں بہت بڑے مرتبہ والے ہیں اور یہی لوگ مراد پانے والے ہیں ;3939; بھلے یہ کفار ان مجاہدین کو صحیح نہ سمجھیں لیکن اللہ کے ہاں وہ بڑے مقام و مرتبہ والے ہیں ،کشمیری قوم محکوم و مجبور ہیں ،برہان وانی کی شہادت نے انھیں ایک نظریہ دیا کہ یہ ہے آزادی حاصل کرنے کا طریقہ شہید برہان وانی نے اپنی جان دیکر بتادیا کہ شہادت تمام مسلمانوں کو ایک درس دیتی ہے

;3939;شہادت ہے مطلوب و مقصود مومن;3939;

;3939;نہ مال غنیمت نہ کشور کشائی;3939;

اس لیے ہ میں اپنے ہیروز کو کبھی نہیں بھولنا چاہیے جو قو میں اپنے ہیروز کو بھول جاتی ہے وہ غرق ہو جاتی ہے آج کشمیر میں بھارتی فوجیوں کی درندگیوں کو دیکھیں توسہی علامہ اقبال کشمیریوں کی صورتحال کو جیسے کل بیان کیا آج کا کشمیر بالکل ویسے کا ویسے ہی ہے

آج وہ کشمیر ہے محکوم و مجبور و فقیر

کل جسے اہلِ نظر کہتے تھے ایرانِ صغیر

کشمیر ہماری شہ رگ ہے اسے آزاد کروانا ہمارا اولین فرض ہے اب ہمارے حکمرانو کو بھی جاگ جانا چاہیے اور عہد کرنا چاہیے کہ اپنا مکمل کردار ادا کریں گئے اقوام متحدہ کو کشمیر کی آزادی اور ان پر مظالم کی یاد دہانی کروانی چاہیے اور عوام کو اپنے بھائیوں کا پشتیبان بننا چاہیے اور اللہ کے حضور ان کے لیے دعا مانگنی چاہیے ۔

شادی کے بعد زندگی میں کیا اہم ترین تبدیلی آتی ہے؟

 شادی کے بعد لگتا ہے کہ زندگی میں سکون کی جگہ تناﺅ بڑھ گیا ہے اور اپنی ذمہ داریوں کا احساس لوگوں کو مشکل میں ڈال دیتا ہے۔

تاہم حقیقت تو یہ ہے کہ شادی شدہ افراد کنواروں کے مقابلے میں کم تناﺅ کا شکار ہوتے ہیں۔

کم از کم سائنس کا تو یہی کہنا ہے کہ شادی شدہ افراد میں تناﺅ کا باعث بننے والے ہارمون کورٹیسول کی سطح کم ہوتی ہے۔

یقیناً شادی کے بعد شریک حیات سے لڑائیاں ہوتی ہیں یا دیگر مشکلات کا سامنا ہوسکتا ہے اور جب احساس ہوتا ہے کہ ابھی زندگی کا کتنا عرصہ ایک ساتھ گزارنا ہے تو یہ تناﺅ خودبخود بڑھ سکتا ہے، تو اس کو دیکھتے ہوئے یہ دعویٰ عجیب لگتا ہے کہ شادی کے بعد زندگی کم تناﺅ کا شکار ہوتی ہے۔

مگر اس بات سے بھی انکار ممکن نہیں کہ شادی کے بعد اچھی یادوں اور تجربات کا بھی سامنا ہوتا ہے۔

امریکا کی پٹسبرگ یونیورسٹی کی اس تحقیق میں محققین نے شادی شدہ، کنوارے اور طلاق یافتہ افراد کو گروپس میں تقسیم کیا اور دیکھا کہ ان میں سے کس گروپ کی زندگی زیادہ تناﺅ کا شکار ہوتی ہے۔

اس کے لیے محققین نے 21 سے 55 سال کے 572 افراد کے لعاب دہن کے نمونے حاصل کیے اور نتائج سے معلوم ہوا کہ شادی شدہ افراد میں تناﺅ کا باعث بننے والے ہارمون کورٹیسول کی سطح کم ہوتی ہے۔

یعنی لوگوں کا شادی کے بعد کی زندگی کے بارے میں تصور جو بھی ہو مگر حقیقت میں جوڑے تنہا افراد کے مقابلے میں کم تناﺅ کا شکار ہوتے ہیں۔

محققین نے یہ بھی دریافت کیا کہ ان لوگوں میں اس ہارمون کی سطح سب سے زیادہ ہوتی ہے جن کی شادی ہوچکی ہو مگر طلاق یا شریک حیات کی وفات کے بعد تنہا زندگی گزار رہے ہوں۔

یہ بات ذہن میں رہے کہ کورٹیسول کی سطح دن بھر بدلتی رہتی ہے، عام طور پر اس کی سب سے بلند شرح کسی فرد میں صبح بیدار ہونے کے بعد ہوتی ہے اور پھر دن بھر کم ہوتی رہتی ہے۔

اس تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ شادی شدہ افراد میں اس ہارمون کی شرح میں کمی زیادہ تیزرفتاری سے ہوتی ہے۔

محققین کا کہنا تھا کہ ویسے ضروری نہیں کہ سب شادی شدہ جوڑوں میں یہ بات درست ثابت ہو، درحقیقت ایک دوسرے کے ساتھ بہتر تعلق تناﺅ کو دور رکھنے کی کنجی ہے۔

خیال رہے کہ ذہنی تناؤ کے نتیجے میں امراض قلب اور کینسر سمیت متعدد امراض کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔

کراچی کے ریستورانوں اور بیکریوں کی آمدنی جانچنے کیلیے سافٹ ویئر کے استعمال کا فیصلہ

کراچی: شہر قائد کے ریستوران اور ہوٹلز بھی ایف بھی آر کے ریڈار پر آگئے، ایف بی آر نے ان کی آمدنی جانچنے کے لیے کیش کاؤنٹر پر جدید سافٹ ویئر انسٹال کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔

عوام سے سیلز ٹیکس وصول کرکے منافع خوری کرنے والے ریسٹورنٹس کی نگرانی کے لیے جدید سافٹ ویئر سسٹم استعمال کیا جائے گا، ایف بی آر نے ہوٹلوں اور ریسٹورنٹس کی نگرانی کے لیے ریسٹورنٹس اور ہوٹلوں کے بلنگ اور کیش سسٹم سے منسلک سافٹ ویئر کراچی کے ہوٹلوں اور ریستورنوں میں انسٹال کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

یکم جولائی سے ریسٹورنٹ اور بیکریوں پر سیلز ٹیکس کی شرح 17 فیصد سے کم کرکے 7.5 فیصد کردی گئی ہے تاہم ریسٹورنٹس اور بیکریوں نے یہ کمی عوام کو منتقل کرنے کے بجائے قیمتوں میں مزید اضافہ کردیا ہے۔ اس سے قبل بھی ریسٹورنٹس عوام سے 17 فیصد سیلز ٹیکس اور صوبائی ٹیکسز وصول کرتے رہے ہیں لیکن انہیں قومی خزانے میں جمع نہیں کرایا۔

اب ایف بی آر نے سیلز ٹیکس کے اعداد و شمار مرتب کرنے کے لیے یومیہ بنیادوں پر ریسٹورنٹس کی سیلز کا ڈیٹا مرتب کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس کے لیے جدید سافٹ ویئر استعمال کیا جائے گا۔ اس طرز کا سافٹ ویئر اسلام آباد کے ہوٹلوں میں بھی استعمال کیا جارہا ہے جس سے بہتر نتائج حاصل ہوئے ہیں

ذرائع نے بتایا کہ اس تجربہ کو کراچی میں بھی دہرانے کا فیصلہ کیا گیا ہے ان لائن مینجمنٹ سافٹ ویئر سے ریسٹورنٹس کی ٹیکس چوری روکنے میں مدد ملے گی۔ ایف بی آر کا مینجمنٹ سافٹ ویر ریسٹورنٹس کے کمپیوٹرز میں انسٹال ہوگا۔

ایف بی آر حکام کے مطابق سافٹ ویر تنصیب سے اصل فروخت پر صحیح ٹیکس کا اندازہ ہوگا، ٹیکس چوری کرنے والے ریسٹورنٹس کے گرد گھیرا تنگ کرنے کے لیے 600 سرفہرست ریسٹورنٹس کی فہرست مرتب کرلی گئی ہے جن سے فروخت کا ڈیٹا حاصل کرنے کے ساتھ ان ہوٹلوں بیکریوں اور ریستورانوں کو مرغی، گوشت، سبزیاں، مسالہ جات اور دیگر لوازمات سپلائی کرنے والے سپلائرز کا بھی ڈیٹا حاصل کیا جائے گا تاکہ ٹیکس نیٹ کو وسیع کیا جاسکے۔

کشمیری نوجوان برہان وانی کی تیسری برسی، پوری وادی فوجی چھاؤنی میں تبدیل

سری نگر: مقبوضہ جموں کشمیرمیں بھارتی فورسزکے ہاتھوں شہید ہونے والے کشمیری نوجوان برہان وانی کی آج تیسری برسی منائی جارہی ہے۔

8 جولائی 2016 کو بھارتی فورسزکے ہاتھوں نوجوان برہان مظفر وانی کی شہادت نے تحریک آزادی کشمیر میں ایک نئی روح پھونک دی۔ برہان وانی اور ان کے دوساتھی ترال کے علاقے میں ایک مکان میں موجود تھے جب قابض فوج نے جعلی مقابلے کے دوران بم مارکرمکان تباہ کردیا، جس سے برہان وانی سمیت  تینوں کشمیری نوجوان شہید ہوگئے تھے۔ برہان وانی کی فوٹیجز اور آزادی کے حق میں شعلہ بیانی نے انہیں کشمیری نوجوانوں کےدلوں کی دھڑکن بنادیا۔

قابض بھارتی فوج نے اپنے مظالم کے خلاف احتجاج روکنے کیلئے پوری وادی کو فوجی چھاؤنی میں تبدیل کردیا ہے۔ شہرشہر مکمل ہڑتال ہے اوربرہان وانی کی تصاویروالے بینرزاورپوسٹرزشہرشہرآویزاں کردئیے گئے ہیں۔

برہان مظفروانی کی تیسری برسی پرحریت قیادت کی کال پروادی بھرمیں مکمل ہڑتال ہے جب کہ کٹھ پتلی انتظامیہ نے موبائل اورانٹرنیٹ سروس بھی معطل کردی ہے اورآزادی کے پروانوں کو وانی کے آبائی علاقےترال تک مارچ کرنے کوکہا گیا ہے۔

بجٹ میں نیا ٹیکس نہیں لگایا، کوئی بتادے تو ابھی واپس لے لوں گا، چیرمین ایف بی آر

فیصل آباد: فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کے چیرمین شبر زیدی نے کہا ہے کہ ہم نے کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا اور اگر کوئی شخص بتا دے کہ نیا ٹیکس لگایا ابھی واپس لے لوں گا۔

فیصل آباد میں ایف بی آر ریجنل آفس میں افسران سے خطاب کرتے ہوئے چیرمین ایف بی آر شبر زیدی نے کہا کہ مہنگائی کی وجہ ڈالر کا اوپر جانا اور مڈل مین ہے، گزشتہ حکومت میں 18 بلین ڈالر خسارہ تھا، ہم نے کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا، کسی ایک نئےٹیکس کانام بتائیں، کوئی بندہ بتا دے کہ نیا ٹیکس لگایا ابھی واپس لے لوں گا۔

ری فنڈ کلیم کے التواء کو ختم کرنے کے لئے کام کررہے ہیں، 2018 کے ریٹرن کی مدت 2 اگست 2019 تک بڑھا دی گئی ہے، ہماری کوشش ہے زیادہ سے زیادہ ریٹرن فائل ہو، اسمگلنگ، انڈر انوائسنگ اور افغان ٹریڈ کا غلط استعمال بہتر کیے بغیر سسٹم ٹھیک نہیں ہوسکتا، تینوں چیزوں پر کنٹرول کے لئے وزیر اعظم اور آرمی چیف نے بھی اتفاق کیا ہے۔

زیرو ریٹنگ کے مختلف تجربات ہوئے، ٹیکسٹائل انڈسٹری کی صورتحال دیکھ کر زیرو ریٹنگ ختم کرنے کا فیصلہ کیا گیا، ایکسپورٹ انڈسٹری کو گیس اور بجلی کی مد میں 200 بلین کی سبسڈی دے رہے ہیں، خریداری کے لیے شناختی کارڈ فراہمی کی شرط کے خلاف احتجاج کا جواب عوام دیں، سب کے پاس شناختی کارڈ ہیں، صرف میڈیا میں شور شرابا کیا جارہا ہے۔

چیرمین ایف بی آر شبر زیدی نے مزید کہا کہ سسٹم کو آٹومیشن کی طرف لے کر جا رہے ہیں، سیلز ٹیکس کی رجسٹریشن آٹومیشن پر لے گئے ہیں، تمام مسائل کا حل آٹومیشن ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایف بی آر میں تبادلے اتنظامی بنیاد پر ہوئے، نیا ایف بی آر بھی موجودہ لوگوں سے ہی بنے گا۔

Google Analytics Alternative