Home » 2019 » September (page 5)

Monthly Archives: September 2019

عالمی امن کو لاحق تباہ کن خطرات ۔ وزیراعظم کی وارننگ

وزیراعظم پاکستان آج کل نیویارک میں ہیں ، جہاں اْنہوں نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے سالانہ اجلاس میں خطاب کرنا ہے اپنے خطاب سے قبل دنیا بھر سے وہاں آئے ہوئے ممالک کے سربراہان سے اْن کی ملاقاتوں کا سلسلہ جاری ہے سب سے ہم اہم اور کلیدی مسئلہ پاکستان کے سامنے مسئلہ کشمیر ہے جہاں بھارت نے گزشتہ ماہ اگست کی پانچ تاریخ کواپنی حد سے بڑی ہوئی بدترین استعماری جارحیت کا ارتکاب کرکے ثابت کردیا ہے کہ وہ جنوبی ایشیا سمیت پورے ایشیا اور دنیا کے امن کو تہہ وبالا کرنے جیسی حماقت پر اتر آیاہے وہ سمجھ رہا ہے کہ امریکا اور مغربی مسلم دشمن طاقتیں اْس کی پشت پناہی پر ہیں حالیہ ہیوسٹن میں ہونے والے بھارتی نژ اد امریکیوں کے ایک اجتماع نے جس میں امریکی صدر ٹرمپ نے بھی شرکت کرکے اپنی لاپرواہ اور مضحکہ خیز روایت کے زیراثر گجرات کے لاکھوں مسلمانوں اور دیگر اقلیتوں کے قاتل قصاب مودی کے بھارت میں گرتے ہوئے قد کاٹھ کو جہاں سنبھالا دیا وہاں مودی نے بھی بھارتی سیاست کے منہ پر کالک مل دی بھارت کو رسوا کیا اور ایک ایسے اجتماع کے شرکاء میں جن کا بھارتی سیاست میں کوئی رول یا کردار نہیں اْنہیں یہ زور دے کر کہا کہ ’’امریکا میں آئندہ باری ڈونلڈ ٹرمپ کی باری‘‘ بھار ت بھر میں مودی پر اس سلسلے میں شدید تنقید ہورہی ہے اگلے برس امریکا میں صدارتی انتخابات ہونگے کیا پتہ کون سی پارٹی کا امیداوار امریکی صدر بنے گا;238; عالمی شہرت یافتہ مفکر ایڈورڈ مورفی کی ایک بات یہاں ہمارے ذہن میں ا;63;گئی وہ کہتے ہیں کہ ’’اگر کسی کام کو انجام دینے کے کئی راستے ہوں اور اْن میں سے ایک راستہ سب سے زیادہ تباہ کن ہو تو یقین جان لو کہ ایک دن ضرور اس معاشرے میں کوئی ایسا احمق پیدا ہوگا جو سب راستوں کو چھوڑ کر اسی تباہ کن راستے کو اپنا ئے گا‘‘ اگلے برس امریکا میں ہونے والے صدارتی الیکشن میں مودی نے ٹرمپ کی حمایت کرکے یہ ثابت کردیا کہ اگلا امریکی صدر اگر ٹرمپ نہ بنا تو امریکی سفارت کاری پر اس کے کتنے گہرے اور بْرے اثرات پڑیں گے اس کہتے ہیں ’’ماروں گھٹنا پھوٹے آنکھ‘‘مودی کی یہ حماقت تو ویسے ہی درمیان میں برسبیل تذکرہ آگئی بات ہم مقبوضہ وادی میں اس کی تباہ کن اْس قیامت کے آثار جیسی حماقت پر کرنا چاہ رہے ہیں جس پر پوری دنیا کی نبضیں تیزہوچکی ہیں پچپن چھپن دن گزرچکے ہیں ایک کروڑ کے لگ بھگ کشمیریوں پر زندگی کی سانسیں لینا دوبھر کردیا گیا ہے پاکستان کے وزیراعظم نے امریکا میں صرف مودی ہی کو نہیں بلکہ عالمی دنیا کے سوئے ہوئے مردہ ضمیروں پر عالمی میڈیاکے روبرو سخت اظہار افسوس کیا عالمی میڈیا کے مدبروں کے سامنے سخت تندوتیز تلخ لب ولہجہ اختیار کیا دنیا سے پوچھا جو آج کشمیریوں پر بھارتی عذاب ڈھانے پر خاموش ہیں ان سے پوچھا کہ اگر ایسا کچھ یعنی کہیں دوچار یا چند درجن نامور یہودیوں یا عیسائیوں پر مقبوضہ وادی جیسی آفت پڑتیں یا قیدوبند کی بندشیں لگائی جاتیں تو امریکا اور مغرب کیا یہی غیر انسانی رویہ ہوتا اور پھر ہیوسٹن کے اجتماع میں ’’اسلامی فوبیا‘‘کا سرعام نام لے کر عالمی سلامتی کے ایک مذہب کی توہین کرنا امریکی صدرکوزیب دیتا ہے جیسی سیاسی وسفارتی حماقتیں گزشتہ چھ برسوں سے گجرات کا ایک عام شخص غیر تعلیم یافتہ شخص نیم خواندہ مذہبی معلومات چاہے وہ ہندومت ہی کا ماننے والا کیوں نہ ہو مودی تو ہندومت کی مکمل تعلیمات سے بھی آشنا نہیں ہے وہ چھ برس سے پاکستان کے پڑوس میں ایک ایٹمی ڈیٹرنس کی صلاحیت رکھنے والے دیش کا سربراہ ہے دنیا نے اْس پر اعتبار کیسے کرلیا;238; جو اب جنوبی ایشیا میں ’’اسلام فوبیائی مرض‘‘ کا بہت ہی گیا گزرا اور لاعلاج مریض ہے پاکستانی وزیراعظم عمران خان ملکی تاریخ کے بہت ہی طاقتور،جرات مند، بے خوف اوراگراْنہیں ہم اسلام کا سپاہی کہیں تو پاکستانی یقینا ہماری بات کی تائید کریں گے اْنہوں نے مقبوضہ وادی میں بھارتی جارحیت اور مقبوضہ وادی میں نافذ کرفیو کے ختم ہونے کے بعد جن خطرات کا بروقت اشارہ دیا ہے اگر دنیا متحرک نہیں ہوئی اور دنیا ’’اسلام فوبیا‘‘ کے نعرے لگاتی رہی تو پھر کوئی نہ پاکستان کو الزام دے نہ ’’اسلام فوبیا‘‘ کی آڑ میں دین اسلام کی شان میں گستاخی کرئے پاکستانی وزیراعظم نے لگی لپٹی بغیر دنیا کو بھارتی عزائم سے آگاہ کردیا ہے اور مودی بھگتوں کو بے نقاب کردیا ہے اب مودی جانے مودی کے بھگت جانیں اور عالمی مسلم دشمن پروپیگنڈا باز جانیں ;238; جنوبی ایشیا میں سب کیا دھرا بھارتی موجودہ اسٹبلیشمنٹ کا کیا دھرا ہے امریکا میں پاکستانی وزیراعظم نے ملکی وعالمی سیاسی وسفارتی تاریخ میں انسانیت دشمنوں کو بہت بْری طرح سے بے نقاب کرکے ایک نئے باب کا اضافہ ضرور کردیا وزیراعظم خان مقبوضہ وادی کی حساس اور نازک ترین صورتحال کے موقع پر اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کرنے گئے اور وہاں اْنہوں نے موقع پر بروقت فائدہ اْٹھایا مقبوضہ کشمیر اور پاکستان کے لئے یہ لمحات بہت ہی چیلنجنگ لمحات ہیں بھارت نے اپنی جنونی نالائق سیاسی حرکت کی جس کے نتیجے میں جنوبی ایشیا کا دیرینہ مسئلہ کشمیر خود ہی دنیا کے سامنے ابھر کر نمایاں ہوگیا پانچ اگست کو جب مقبوضہ وادی میں گورنرراج نافذ تھا ریاستی اسمبلی کاوجود نہیں تھا اچانک سے جلد بازی میں جوکہ ہمیشہ سے شیطانی حربہ مانا گیا ہے کسی سے تو نہ پوچھا گیا نہ مشورہ لیا گیا، کئی دہائیوں سے مقبوضہ وادی میں لاگو بھارتی آئین سے اْس آرٹیکل کو جسے تین سوستر کہا جاتا تھا نکال دیا گیا، یہ آرٹیکل اصل میں مبقوضہ وادی کے ساتھ بھارتی الحاق ایک بہت ہی کمزور ناطہ سمجھ لیں جسے اہل کشمیر بھی تسلیم نہیں کرتے تھے اور ہم پاکستانیوں نے بھی کبھی اس متنازعہ آرٹیکل کو کشمیر کے بھارت کے ساتھ الحاق کا وجہ مانا نہیں ،بقول سابق ریاستی وزرائے اعلیٰ شیخ عبداللہ فیملی اور مفتی سعید فیملی کے کہ ’’ہم اسی آرٹیکل کی وجہ سے بھارت کے ساتھ تھے بھارت کا ساتھ دیتے تھے مگر اب خود بھارت نے ہ میں اپنے سے علیحدہ کردیا اس کامطلب واضح ہوگیا کہ اب مقبوضہ وادی خود مختار اور آزاد ہوگئی ہے پانچ اگست کو جب نئی دہلی نے یہ انتہائی قدم اْٹھایا تو بی جے پی یعنی آرایس ایس کے سیاسی وسفارتی حکام کی سراسیمگیاں دیکھنے کے قابل تھیں پورے کشمیر کو لاک ڈاون کردیا گیا لینڈ لائن فونز بند کردئیے گئے وادی میں انٹر نیٹ سروس جام کردی گئی ٹی وی کیبلز معطل کردئیے گئے، اخبارات کی اشاعت پر پابندی لگادی گئی، تاحال غیر معینہ مدت کے لئے بھارت کی باقاعدہ لڑاکا فوج کی نگرانی میں وادی میں کرفیو نافذ کردیا گیا ایک کروڑ کی آبادی کے کشمیر کا رابطہ دنیا سے تادم تحریر منقطع ہے اس دوران عیدالا اضحی بھی گزر گئی کشمیر کی سبھی بڑی مساجد میں عید کی نماز کے اجتماعات نہیں ہوسکے کئی جمعہ گزر گئے جامع مسجدوں میں بھارتی فوج نے تالے ڈالے ہوئے ہیں ، پانچ اگست سے آج ستمبر کے آخری ایام بیت رہے ہیں ، معلوم اطلاعات کے مطابق اب تک پانچ سے سات ہزار تک کشمیری نوجوانوں کی گرفتاریاں عمل میں لائی جاچکی ہیں ، کشمیر مکمل بند ہے، لاک ڈاون ہے آر ایس ایس کے ہندوجنونی بھارت بھر میں جشن منارہے ہیں کہ ’’ہاوڈی مودی‘‘ نے مسئلہ کشمیر ہمیشہ ہمیشہ کے لئے ’’حل‘‘ کردیا ہے;238; کشمیر میں کیا ہورہا ہے کسی کو معلوم نہیں ;238; یہاں اس بارے مین چند معلوماتی سطریں لکھی جارہی ہیں ، یہ بھارتی سوشل میڈیا کے اْن درجنوں مواصلاتی ذراءع سے لی گئی ہیں جو ہمارے قارئین خود جب چاہے دیکھ سکتے ہیں جن خاص طور پر ’’دی نیوزکلک،دی وائر،پاروش شرما ،رویش کمار،دی آزادی اورجان گن من کی بات‘‘جسے کئی سیکولر طبقات کے صحافیوں کے شوز ہیں جو ’’گودی میڈیا‘‘ کے پھیلائے ہوئے جھوٹ کے پول کھول رہے ہیں ایسے میں یہاں ہم پاکستانی عوام اپنے دلیر،بہادر، نیک نیت اور دیانت دار وزیراعظم عمران خان کو کھل کر سپورٹ کریں گے جو پاکستان کی تاریخ میں پہلے وزیراعظم مانے جارہے ہیں ، جو بے خوفی کے ساتھ ’’پلے کچھ نہ ہونے کے باوجود‘‘ پاکستان کا کشمیر کیس عالمی میڈیا میں امریکا میں بیٹھ کر جس سیاسی فہم وفراست اور تاریخی حقائق کے دلائل کی جزوئیات کو عالمی میڈیا میں ’’اوپن‘‘کیئے جارہے ہیں ماضی قریب میں ایسا ہوتا ہوا کبھی ہم نے نہیں دیکھا اب بھی وقت دنیا بھارت کی طرف سے بیدار ہوجائے ۔

چمن،تاج روڈ پر دھماکہ،ایک شخص جاں بحق 8 افراد زخمی

چمن/دھماکہ
چمن،تاج روڈ پر دھماکہ،ایک شخص جاں بحق 8 افراد زخمی،پولیس
جے یو آئی ف کے رہنما مولانا محمد حنیف دھماکے میں زخمی
دھماکہ خیز مواد موٹر سائیکل میں نصب تھا، پولیس
زخمیوں کو ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر کو ہسپتال منتقل کیا جارہا ہے
دھماکے سے متعدد عمارتوں کے شیشے ٹوٹ گئے،پولیس
دھماکے کے بعد ایک گاڑی میں آگ لگ گئی، پولیس

ہنگو: نامعلوم افراد کی منی بس پر فائرنگ، 6 افراد جاں بحق،4 زخمی

ہنگو: ہنگو کے علاقے زرگری میں منی بس پر فائرنگ کے نتیجے میں 6 افراد جاں بحق جبکہ 4 زخمی ہوگئے، زخمی اور لاشیں ڈی ایچ کیو ہسپتال منتقل کر دی گئیں۔

فائرنگ کے واقعے کے بعد پولیس کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی۔ جائے وقوع شواہد اکھٹے کرنا شروع کر دیئے۔ پولیس کے مطابق واقعے کی تمام پہلوؤں سے تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

بھارتی سپریم کورٹ: آرٹیکل 370 اور 35 اے کیس کی سماعت کیلئے بنچ تشکیل

نئی دہلی: بھارتی سپریم کورٹ نے آرٹیکل 370 اور 35 اے کیس کی سماعت کے لیے بنچ تشکیل دے دیا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق 5 رکنی بینچ یکم اکتوبر کو سماعت کا آغاز کرے گا۔

یاد رہے اس قبل بھارتی سپریم کورٹ نے مودی سرکار کو مقبوضہ کشمیر میں کرفیو ہٹا کر حالات نارمل کرنے کا حکم دیا تھا۔ عدالت نے کانگریس رہنما غلام نبی آزاد کو بھی وادی کا دورہ کرنے کی اجازت دیتے ہوئے اصل حقائق عدالت میں رپورٹ کرنے کی ہدایت کی تھی۔ چیف جسٹس کا کہنا تھا ضرورت پڑی تو وہ خود بھی مقبوضہ وادی جائیں گے۔

صوبیہ خان نے شوبز سے عارضی طور پر کنارہ کشی کرلی

لاہور: اداکارہ صوبیہ خان نے کہا ہے کہ میں نے عارضی طور پر شوبز سے کنارہ کشی اختیار کی ہے اور شوبز کو مکمل طو رپر خیر باد کہنے کی خبروں میں قطعا کوئی صداقت نہیں۔

ایک انٹرویو میں صوبیہ خان نے بتایا کہ میں اپنے شوہر کے پاس آسٹریلیا جا رہی ہوں جہاں دو سے تین ماہ قیام کروں گی۔ انہوں نے کہا کہ شوبز میں دوبارہ کب واپسی ہو گی اس بارے حتمی طور پر کچھ نہیں کہہ سکتی لیکن اسے مکمل خیر باد کہنے کی خبروں میں کوئی صداقت نہیں۔

واضح رہے صوبیہ خان کے شوہر عثمان قادر کرکٹ کھیلنے کیلئے آسٹریلیا میں قیام پذیر ہیں۔

کشمیری سڑکوں پر نکل آئے، تاریخی خطاب پر عمران خان کے حق میں نعرے

وادی: مقبوضہ وادی میں بھارتی جبری پابندیوں کو آج 56 روز ہوگئے، صورہ میں سیکڑوں کشمیری سڑکوں پر نکل آئے، وزیراعظم عمران خان کے حق میں نعرے لگائے۔

اقوام متحدہ کے اجلاس میں کشمیریوں کی آواز بننے پر مقبوضہ وادی میں وزیراعظم عمران خان کے نعرے گونج اٹھے، صورہ میں سیکڑوں کشمیریوں نے پاکستانی جھنڈے تھام کر بھارت مخالف مظاہرہ کیا۔ وادی کے نوجوانوں نے عمران خان کے حق میں نعرے لگائے۔ کشمیری نوجوان نے وزیراعظم کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ اللہ کے بعد عمران خان پر بھروسہ ہے۔

بھارتی فوج نے وادی میں 5 اگست سے کرفیو نافذ کر رکھا ہے، کشمیری اپنے گھروں میں قید ہو کر رہ گئے ہیں، 56 روز سے انٹرنیٹ موبائل سروس اور کاروبار بند ہیں جبکہ ہزاروں نوجوانون کو کالے قانون پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت گرفتار کیا جاچکا ہے۔

ثانیہ مرزا نے ٹینس کورٹ میں واپسی کیلئے بھرپور تیاریاں شروع کر دیں

لاہور: (ویب ڈیسک) بھارتی ٹینس سٹار اور پاکستانی کرکٹ شعیب ملک کی اہلیہ ثانیہ مرزا نے ایک مرتبہ پھر ٹینس کورٹ میں واپسی کے لیے بھرپور تیاریاں شروع کر دی ہیں۔

ذرائع کے مطابق دنیائے ٹینس میں واپسی کے لیے انہوں نے چار ماہ کے دوران اپنا 26 کلو وزن کم کیا ہے، جس کے بعد ان کے مداح انہیں زبردست داد دے رہے ہیں۔

بھارتی ٹینس سٹار نے سوشل میڈیا کی مشہور ویب سائٹ انسٹا گرام پر اپنی وڈیو شیئر کی ہے، ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ وہ جم میں اپنی فٹنس پر زبردست ورزش کرتی نظر آ رہی ہیں۔

انسٹا گرام پر انہوں نے لکھا کہ بیٹے کی پیدائش کے وقت میرا وزن 26 کلو بڑھ گیا تھا جس کو کم کرنا میرے لیے ایک مشکل ترین مرحلہ تھا۔ میں سب کو بتانا چاہتی ہوں اگر ہم روزانہ ایک سے دو گھنٹے کے لیےورزش کریں تو تو خود کو ذہنی اور جسمانی طور پر فٹ رکھ سکتے ہیں۔ثانیہ مرزا کی جانب سے سماجی رابطے پر شیئر کی جانے والی وڈیو وائرل ہوئی ہے جس پر ان کے مداح اور ناقدین مختلف نوعیت کے تبصرے کررہے ہیں۔

یادرہے کہ بھارتی ٹینس سٹار نے پاکستانی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان کے ساتھ 2010ء میں شادی کی تھی جبکہ ان کے ہاں 8 سال کے وقفے کے بعد اکتوبر 2018ء میں ہاں بیٹے کی پیدائش ہوئی تھی، دونوں نے بیٹے کا نام اذہان مرزا ملک رکھا تھا۔

عوام کیلئے خوشخبری، پٹرول 2 روپے 55 پیسے سستا ہونے کا امکان

اسلام آباد: عوام کے لیے بڑی خوشخبری آنے کے لیے تیار ہے، یکم اکتوبر کو پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا امکان ہے۔

ذرائع کے مطابق اوگرا نے آئندہ ماہ اکتوبر کے لیے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ردو بدل کی سمری پٹرولیم ڈویژن کو بھجوا دی ہے، پٹرول 2 روپے 55 پیسے سستا ہونے کا امکان ہے۔

یہ بھی پڑھیں: پٹرولیم مصنوعات اور سی این جی کی قیمتوں میں کمی کردی گئی

ذرائع کے مطابق ہائی سپیڈ ڈیزل تین روپے 23 پیسے فی لٹر کم ہونے کا امکان ہے جبکہ مٹی کے تیل کی قیمتیں بڑھانے کی تیاریاں کی جا رہی ہیں، مٹی کے تیل کی قیمت میں 1 روپے 19 پیسے اضافہ کی سفارش کی گئی ہے۔

ذرائع کے مطابق لائٹ ڈیزل آئل کی قیمت 2 روپے 41 پیسے فی لٹر کم کرنے کی سفارش کی گئی ہے، اوگرا نے قمیتوں میں ردو بدل کی سمری پٹرولیم ڈویژن کو بھجوا دی گئی ہے۔

اس سے قبل گزشتہ ماہ بھی پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کی گئی تھی، پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 5 روپے 63 پیسے تک کمی کی گئی تھی، یکم ستمبر سے پٹرول کی قیمت میں 4 روپے 59 پیسے فی لٹر کمی کی گئی ہے جسکے بعد نئی قیمت 113 روپے 24 پیسے فی لٹر ہو گئی۔

وزارت خزانہ کے مطابق ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 5 روپے 33 فی لٹر کمی کی گئی، ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت 127 روپے 14 پیسے فی لٹر ہو گئی تھی۔

مٹی کا تیل 4 روپے 27 پیسے فی لٹرسستا کیا گیا جس کے بعد مٹی کے تیل کی نئی قیمت 99 روپے 57 پیسے ہو گئی تھی۔

لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 5 روپے 63 پیسے فی لٹر کمی کی گئی۔ جسکے بعد لائٹ ڈیزل کی نئی قیمت 91 روپے 89 پیسے فی لٹر ہو گئی تھی۔

Google Analytics Alternative