Home » 2019 » October » 07

Daily Archives: October 7, 2019

آرمی چیف کے سامنے تاجروں کے نیب سے متعلق تحفظات بلاجواز ہیں، چیئرمین نیب

اسلام آباد: چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کا کہنا ہے کہ آرمی چیف کے سامنے تاجروں کے نیب سے متعلق تحفظات بلاجواز ہیں۔

اسلام آباد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے چیئرمین نیب کا کہنا تھا کہ نیب مادرپدر آزاد نہیں، نیب کے امیج کو بہتر بنانے کی دیانتداری سے کوشش کی، نیب وائٹ کالر کرائم کی تحقیقات کررہا ہے، ملکی پالیساں بنانے میں نیب کا کوئی کردار نہیں البتہ بیروزگاری کا خاتمہ صرف حکومت کا کام نہیں ہے تاہم کوئی شخص یا ادارہ عقل قل نہیں، ادارے ہوں یا انسان خامیاں سب میں ہوتی ہیں۔

چیئرمین نیب کا کہنا تھا کہ پاکستان آزاد ملک ہے آئین اور قانون کی حکمرانی ہے، کسی بھی ملک کے زوال میں بدعنوانی اہم کردار ادا کرتا ہے، قائداعظم نے کہا تھا بدعنوانی اور اقرباپروری پاکستان کے دوبڑے مسئلے ہیں جب کہ معیشت ملک کی ریڑھ کی ہڈی ہے، نجی سیکٹر کردار ادا کرے تو ملکی معیشت بہتر ہوسکتی ہے، معیشت مضبوط ہونے تک ملک اور اس کا دفاع مضبوط نہیں ہوسکتا۔

جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہا کہ آرمی چیف اور وزیراعظم کے سامنے رکھے گئے تحفظات پر بات کرنا چاہوں گا، نیب ایسا کوئی قدم نہیں اٹھائے گا جس سے بزنس کمیونٹی کا مورال نیچا ہو، ہر ایک کی عزت نفس کا خیال ہے، بلا جواز تنقید کا جواب دینا ضروری ہے، نیب سے متعلق تاجروں کے کچھ تحفظات بلاجواز ہیں، تاجر برادری کیلئے کئی اقدامات کئے ہیں۔

چیئرمین نیب کا کہنا تھا کہ نیب آج کے بعد ٹیکس کے معاملات میں مداخلت نہیں کرے گا،  ٹیکس سے متعلق تمام ریفرنس واپس لینے کا فیصلہ کرلیا ہے، بزنس مین کو نیب کی جانب سے نوٹس بھیجا جائے گا، بینک ڈیفالٹ کے معاملات نیب نہیں دیکھے گا، متعلقہ بینک کی جانب سے درخواست کے بغیر نیب بینک ڈیفالٹ کیسز نہیں لے گا، کوئی نیب افسر کسی بھی بزنس مین کو ٹیلی فون کال نہیں کرے گا۔

وزیراعظم آج 3 روزہ دورے پر چین روانہ ہوں گے

 اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان آج 3 روزہ دورہ چین پر بیجنگ روانہ ہوں گے۔

وزیراعظم عمران خان آج 3 روزہ دورہ چین پر بیجنگ روانہ ہوں گے جہاں وہ چینی صدر شی جن پنگ سمیت اعلیٰ چینی قیادت سے ملاقاتیں کریں گے۔

وزیراعظم کے ہمراہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، وزیر ریلوے شیخ رشید، وزیرمنصوبہ بندی خسروبختیار اور مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ بھی چین جائیں گے۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم کے چین کے دورے کے دوران مسئلہ کشمیر کے حوالے سے چینی حکام سے بات چیت ہوگی، متعدد مفاہمتی یاد داشتوں پر بھی دستخط ہوں گے جب کہ پاک چین جوائنٹ کوآرڈی نیشن کمیٹی کےامور بھی زیر غور آئیں گے جس کے بعد جمعرات کو وزیراعظم کی وطن واپسی ہوگی۔

بھارتی فوج شاید کارگل کی جنگ بھول گئی، پرویز مشرف

اسلام آباد: سابق صدر اور اے پی ایم ایل کے سربراہ جنرل (ر) پرویز مشرف نے کہا ہے کہ بھارتی فوجی شاید کارگل کی جنگ بھول گئی جب بھارت نے پاکستان کی فوجیں واپس بھجوانے کے لیے اپنا سفیر بل کلنٹن کے پاس بھیجا تھا۔

آل پاکستان مسلم لیگ کے یوم تاسیس کی تقریب سے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے پرویز مشرف کا کہنا تھا کہ بھارت پاکستان کو بار بار جنگ کی دھمکیاں دے رہا ہے، بھارت یاد رکھے پاکستانی قوم اور فوج نے چوڑیاں نہیں پہنیں۔

سابق آرمی چیف نے کہا کہ بھارتی فوج شاید کارگل کی جنگ بھول گئی جب بھارت نے کارگل جنگ میں امریکی صدر بل کلنٹن کے پاس اپنا سفیر بھیجا اور کلنٹن سے مدد مانگتے ہوئے پاکستان پر دباؤ ڈالنے کی درخواست کی تھی تاکہ پاکستان کارگل سے اپنی فوج واپس بلالے۔

مشرف نے کہا کہ انڈیا نے کارگل اور 27 فروری کے واقعے سے سبق نہیں سیکھا، پاکستانی وزیراعظم بار بار بھارت کو امن کا پیغام دے رہے ہیں، ہم اس مقام پر نہیں جانا چاہتے جہاں پھر آپ کو سبق سکھایا جائے، ہم جنگ کے حامی نہیں لیکن جب میدان میں آئیں گے بھارت کو سبق سکھا دیں گے اور پاکستانی قوم اور فوج خون کے آخری قطرے تک لڑے گی۔

سابق صدر نے مزید کہا کہ کشمیر ہماری رگوں میں خون کی طرح بہتا ہے، ہماری مدد کشمیری بہن بھائیوں کے ساتھ ہے۔

رویت ہلال کمیٹی کو ماہ صفر کی غلط اطلاع پر معافی مانگنی چاہیے، فواد چوہدری

لاہور: وفاقی وزیر سائنس اور ٹیکنالوجی فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ رویت ہلال کمیٹی کو صفر کے مہینے کی غلط اطلاع پر معافی مانگنی چاہیے۔

لاہور میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ عقل اور شعور رکھنے والا طبقہ بات سمجھ سکتا ہے۔ باشعور طبقے کو بتانا چاہتا ہوں عقل و علم سے ہی آگے بڑھ سکتے ہیں، ملک کا ایک ایسا بے شعور طبقہ ہے جس سے بات ہی نہیں کی جا سکتی، دوربین سے چاند دیکھنا غلط ہے تو پھر عینک سے دیکھنا بھی غلط ہے، عید پر خیبرپختونخوا میں ہمارا کیلنڈر تسلیم نہیں کیا گیا، صفر کے مہینے کیلیے تصاویر جاری کی ہیں جس سے چاند کی شہادت دیکھی جا سکتی ہے، رویت ہلال کمیٹی کو صفر کے مہینے کی غلط اطلاع  پر معافی مانگنی چاہیے۔

فواد چوہدری نے مزید کہا کہ وزارت سائنس اور ٹیکنالوجی میں اصلاحات لے کر آیا ہوں، ہوسکتا ہے آنے والے برسوں میں کھمبے اور تاریں ختم ہوجائیں، لاہور اور اسلام آباد میں پانی ہر سال ایک میٹر نیچے چلا جاتاہے، ایل ڈی اےاور سی ڈی اے کو واٹر ری چارج کی پیشکش کی ہے، کچرے سے گیزر کے لیے گیس بنانے کی تجویز دی ہے، زراعت کےشعبے میں ڈرون کے ذریعے اسپرے کا کام کیا جاسکتا ہے، وزیر اعظم سے پاکستان میں ڈرون پر عائد پابندی ہٹانے کے لیے درخواست کی ہے

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ  پیپلز پارٹی اور (ن) لیگ کا مطالبہ آصف زرداری اور نواز شریف کی جیل سے رہائی ہے، ہم روز کہتے ہیں کہ پیسے دو اور ابو لو۔ نواز شریف اور آصف زرداری کے شطرنج کے کھیل کے فضل الرحمان پیادہ ہیں، جمعیت علمائے اسلام کا الیکشن سے تو اتنا تعلق ہی نہیں، پیپلز پارٹی اور (ن) لیگ مولانا فضل الرحمان کو فنڈ کر رہی ہے۔ عام آدمی مولانا فضل الرحمن سے نہیں جڑا ، کوئی باہر نہیں نکلے گا۔

قوم بھارت سے مقابلے کیلیے تیار ہے مگر وزیراعظم باہر نہیں نکل رہے، سراج الحق

لاہور: امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ پوری قوم بھارت سے مقابلے کے لیے تیار ہے لیکن خود کو ٹیپو سلطان کہنے والے وزیراعظم ایئرکنڈیشنڈ سے باہر نہیں نکل رہے۔

لاہور کے مال روڈ پر منعقدہ’ کشمیر بچاؤ مارچ‘ سے خطاب کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ وزیراعظم کی یواین میں کی گئی تقریر کے الفاظ ان کا پیچھا کررہے ہیں، وزیراعظم نے کہا تھا کہ اتنا انتظار کرلیں کہ میں اقوام متحدہ میں تقریر کرلوں، اب تقریر کو 9 دن گزر گئے لیکن کشمیر سے کوئی کرفیو نہیں اٹھا، کوئی قیدی رہا نہیں ہوا، بسترمرگ پر موجود یاسین ملک، سید علی گیلانی، شبیر شاہ اور حریت قیادت باہر نہیں آسکے، کئی کشمیری اپنے گھروں میں شہید ہوچکے اور انہیں دفنانے کی بھی اجازت نہیں ہے۔

سراج الحق کا کہنا تھا کہ کشمیری سرینگر میں پاکستان کی بقا کی جنگ لڑ رہے ہیں ان کی بستیاں برباد قبرستان آباد ہو گئے ہیں، حکمرانوں کی عقل پرافسوس ہے جو کہتے تھے مودی کامیاب ہوگا تو مسئلہ کشمیر حل ہوگا، جنگ مسئلے کا حل نہیں ہے توبتائیں تو سہی پھر حل کیا ہے؟  جب کہ وزیراعظم اب کہتے ہیں جس نے ایل اوسی عبور کی یہ ملک کے ساتھ غداری ہوگی مگر ہم کہتے ہیں جہادفی سبیل اللہ کے علاوہ کوئی راستہ نہیں ہے۔

امیر جماعت اسلامی کا کہنا تھا کہ آرٹیکل 370 اور 35 اے ختم کرنا مودی کی الیکشن مہم کا حصہ تھا اور ساری دنیا جانتی ہے مودی کا اگلا ایجنڈا پاکستان ہے، مودی اور ٹرمپ دونوں چکرباز ہیں ہمیں امریکا کی ثالثی منظور نہیں ہے، حکمران بزدل ہوچکے ہیں اور عمران خان نے امریکا کے ڈر سے عافیہ صدیقی کی رہائی کی بات نہیں کی۔ حکومت نے معیشت،سیاست اور عدالتوں کا بیڑا غرق کردیا ہے، وزیراعظم کے موجود ہوتے ہوئے تاجر،نوجوان آرمی چیف سے مل رہے ہیں، انہیں وزیراعظم پراعتماد نہیں رہا۔

اسلام آباد جانے سے روکا گیا تو پورا ملک جام کردیں گے، مولانا فضل الرحمان

پشاور: جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ اسلام آباد جانے سے روکا گیا تو پورا ملک جام کرکے رکھ دیں گے۔

پشاور میں صوبہ بھر کے علماء کے نمائندہ کنونشن سے خطاب کے دوران مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ ملک کی معیشت کی کشتی ہچکولے کھارہی ہے اور نااہل حکمران بیرونی قوتوں کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہوکر ملک کو مزید تباہی کی طرف لے جارہی ہے۔ کشمیر کی جنگ ہم لڑ رہے ہیں اور حکمران کشمیر پر سودے بازی کرکے کشمیریوں کا خون بھیج رہی ہے، تقریر پر خوشیاں منانے والے یو ٹرن کے ماہر ہیں۔

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ مدارسِ دینیہ نے ہمیشہ ہر موقع پر جاندار کردار ادا کیا ہے، مدارسِ کو قومی دھارے میں لانے والے خود اسلامی دھاڑے میں آجائیں۔ ہم مدارسِ دینیہ کے دفاع کی جنگ لڑرہے ہیں، ہم مدارسِ کو کسی کے رحم وکرم پر نہیں چھوڑ سکتے۔

سربراہ جے یو آئی کا کہنا تھا کہ زندگی کے تمام طبقات حکمرانوں کے خلاف میدان میں نکل کر اپنے حقوق کی جنگ لڑرہے ہیں۔ 27 اکتوبر کو ملک بھر سے قافلے اسلام آباد کی طرف روانہ ہوں گے آور پرامن طور پر اپنا آئینی حق استعمال کرتے ہوئے موجودہ حکمرانوں کے خلاف میدان عمل میں آئیں گے۔ مذہبی کارڈ آور مدارسِ کے حوالے سے پروپیگینڈا کرنے والوں نے اپنے دھرنوں میں معصوم بچوں اور بچیوں کو لا کر قوم کو شرم سے جھکا دیا۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ آئین آور اس کی اسلامی شقوں کے تحفظ کی جنگ لڑنا آگر مذہبی کارڈ ہے تو یہ جنگ ہم ضرور لڑیں گے، آزادی مارچ کے لیے ہم نے مختلف پلان تیار کئے ہیں اور حکمت عملی طے کرنے کے بعد موقع پر اعلان کریں گے۔ اگر اسلام آباد جانے سے روکا گیا تو پورا ملک جام کرکے رکھ دیں گے، گرفتاریوں کی صورت میں تمام تر حالات کی ذمہ دار حکومت ہوگی۔

بھارت کشمیر میں فوری کرفیو ختم کرکے تمام قیدیوں کو رہا کرے، امریکی سینیٹرز

مظفرآ باد: آزاد کشمیر کا دورہ کرنے والے امریکی کانگریس کے سینیٹرز نے کہا ہے کہ بھارت کشمیر میں فوری کرفیو ختم کر کےتمام قیدیوں کو رہا کرے۔

سینیٹرز کرس وان ہولن اور میگی حسن پر مشتمل امریکی کانگریس کے وفد نے مظفر آباد کا دورہ کیا جہاں پاک فوج کے میجرجنرل عامر نے امریکی کانگریس کے وفد کو ایل او سی پر موجودہ صورتحال پر تفصیلی بریفنگ دی اور وفد کو مقبوضہ کشمیر کی بگڑتی صورتحال اور کرفیو سے پیدا صورتحال سےآگاہ کیا۔

بعدازاں وفد نے آزاد جموں و کشمیرکے صدر سردار مسعود خان اور وزیراعظم راجہ فاروق حیدر سے بھی ملاقات کی، جس میں آزادکشمیر کی قیادت نے دونوں سینیٹرز کے دورے پر شکریہ ادا کیا اور عوام کی خاطر خواہ حمایت کو سراہا۔

صدر و وزیر اعظم آزاد کشمیر کا کہنا تھا کہ امریکی سینیٹرز مقبوضہ کشمیر کے لوگوں کو بھارت کے جابرانہ وحشیانہ اقدامات سے بچانے کے لئے اپنا کردار ادا کریں، امریکی وفد کے دورے اور کشمیریوں کی جدوجہد کو سپورٹ کرنے پر شکر گزار ہیں۔

اس موقع پر امریکی کانگریس کے سینیٹرز نے  کہا ہے کہ بھارت کشمیر میں فوری کرفیو ختم کرکے تمام قیدیوں کو رہاکرے جب کہ  مسئلہ کشمیر کے مستقل اور دیرپا حل کیلئے کوششیں کی جانی چاہئیں۔

امریکی صدارتی امیدوار اورسینیٹ کمیٹی کشمیریوں کے حق میں بول پڑے

واشنگٹن: امریکی صدارتی امیدوار الزبتھ وارن اور امریکی سینیٹ کمیٹی برائے خارجہ امور نے مقبوضہ کشمیر میں انسانیت سوز مظالم پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مودی سرکار کے غیر آئینی اقدامات اور کرفیو ختم کر کے بنیادی انسانی حقوق کی فراہمی کا مطالبہ کیا ہے۔

موجودہ سینیٹر اور 2020 میں ہونے والے صدارتی الیکشن کے لیے امیدوار الزبتھ وارن سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر کشمیریوں کے حق میں بول پڑیں، اپنی ٹویٹ میں انہوں نے لکھا کہ بھارت اور امریکا کے درمیان گہرے سیاسی تعلقات ہیں اور دونوں جمہوری اقدار کے حامل ممالک ہیں اس لیے میں کشمیریوں کے انسانی حقوق کی فراہمی کو یقینی بنانے، کرفیو سمیت دیگر پابندیوں کے خاتمے اور ان کے رائے کا احترام کرنے کا مطالبہ کرتی ہوں۔

دوسری جانب امریکی سینیٹ کمیٹی برائے خارجہ امور نے مقبوضہ کشمیر میں جاری انسانی بحران کے خاتمے کی اپیل 2020 کے سالانہ غیر ملکی تخصیصی ایکٹ میں شامل کرلی ہے اور مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کشمیر میں کرفیو اور لاک ڈاؤن ختم کرنے، مواصلات اور انٹرنیٹ سروس بحال کرنے اور اسیر رہنماؤں کی رہائی کا بھی مطالبہ کیا۔

واضح رہے کہ مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کے خاتمے کے دن سے مسلسل نافذ کرفیو کو 63 دن بیت گئے ہیں، لاکھوں کشمیری لاک ڈاؤن کے باعث گھروں میں محصور ہوگئے ہیں۔ بنیادی انسانی حقوق معطل ہیں اور گھر گھر چھاپوں کے دوران بچوں کو تک کو حراست میں لیا جا رہا ہے اس کے باوجود بہادر و دلیر کشمیری اپنے حقوق کے لیے قابض فوج کے سامنے احتجاج کیلیے سڑکوں پر نکل آتی ہے۔

Google Analytics Alternative