Home » Author Archives: Admin (page 10)

Author Archives: Admin

احتساب شروع ہوگیا جس نے جو کیا ہے وہ بھگتے گا، وفاقی وزیر داخلہ

کراچی: وفاقی وزیر داخلہ بریگیڈیئر ریٹائرڈ اعجاز شاہ کا کہنا ہے کہ احتساب شروع ہوگیا ہے اب جس نے جو کیا ہے وہ بھگتے گا۔  

کراچی میں گورنر سندھ عمران اسماعیل کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیرداخلہ اعجاز شاہ نے کہا کہ نیب ایک آزاد ادارہ ہے اس کا چیئرمین (ن) لیگ اور پیپلز پارٹی نے ہی لگایا تھا، کسی کی گرفتاری میں حکومت کا کوئی دخل نہیں، کسی نے کچھ کیا ہوگا جب ہی گرفتاری ہوئی ہے، احتساب شروع ہوگیا ہے جس نے جو کیا ہے وہ بھگتے گا، مفتاح اسماعیل نے کچھ کیاہوگا جو نیب گرفتار کرے گی، آصف زرداری نے خود کہا تھا ایسا تو ہوتا ہے ایسے کاموں میں۔

اعجاز شاہ کا کہنا تھا کہ پاکستان کی پالیسی میں واضح تبدیلی آئی ہے، وزیراعظم واضح طور پر یہ کہہ چکے ہیں وہ کسی کی جنگ نہیں لڑیں گے، وزیراعظم نے کئی بار کہا ہے کہ یہاں وار لارڈ نہیں ہونے چاہئیں، وزیراعظم وہ کام ضرور کریں گے جو ملکی مفاد میں ہو، اب کوئی بندوق لے کر نہیں چل سکتا۔

اس موقع پر گورنر سندھ عمران اسماعیل کا کہنا تھا کہ وزیراعظم کی خصوصی ہدایت پر وزیرداخلہ کراچی آئے ہیں، کراچی نے بہت کشت وخون دیکھا ہے، سندھ میں پائیدار امن وامان کی صورتحال چاہتے ہیں، سندھ میں سیاسی صورتحال پر بھی وزیرداخلہ سےبات ہوئی  ہے۔

رواں ماہ یہ 4 فلمیں سینما گھروں میں دیکھنا نہ بھولیں

رواں برس پاکستانی فلموں کے حوالے سے بہت اچھا رہا ہے کیوں کہ اب تک سینما گھروں میں گیارہ فلمیں ریلیز ہوچکی ہیں۔

اور اس سے بھی اچھی بات یہ ہے کہ ان میں سے نصف کو کامیابی نصیب ہوئی۔

پاکستانی سینما گھروں میں بھارتی فلموں پر لگی پابندی کے باوجود پاکستانی فلمیں شائقین کو سینما گھروں تک لانے میں کامیاب رہی ہیں جو کہ ایک خوش آئندہ بات ہے۔

ماہ جولائی میں بھی چار پاکستانی فلمیں ریلیز کے لئے پیش کی جارہی ہیں، ذیل میں ان کا تعارف موجود ہے:

ریڈی اسٹیڈی نو

انیس جولائی کو پاکستان بھر میں ریلیز کی جانے والی ریڈی اسٹیڈی نو ایک رومانوی کامیڈی فلم ہے۔

فلم کی کاسٹ میں آمنہ الیاس فیصل سیف، سلمان شاہد نمایاں ہیں۔ فلم کے لکھاری و ہدایت کار ہشام بن منور ہیں۔

ریڈی اسٹیڈی نو کا بجٹ پانچ کروڑ بتایا جارہا ہے۔

تم ہی تو ہو

نامور ہدایت کارہ سنگیتا کی فلم تم ہی تو ہو کو دسمبر 2016 میں ریلیز ہونا تھا مگر چند وجوہات کی بنا پر یہ فلم تاخیر کا شکار ہوئی اور اب اس فلم کو 19 جولائی کو پیش کیا جارہا ہے۔

فلم کی نمایاں کاسٹ میں دانش تیمور، قرت العین اور متھیرا ہیں۔ فلم پر کل چھ کروڑ روپے لاگت آئی ہے۔

تیور

لکھاری و ہدایت کار ابوعلیحہ کی ریونج تھرلر فلم عارفہ کے نام سے 2017 میں ریلیز ہونا تھی جسے اب تیور نام سے بدل دیا گیا۔

فلم اب 26 جولائی کو ریلیز ہوگی۔

یاد رہے کہ ابوعلیحہ نے رواں برس ماہ جون میں کتاکشا جیسی ہٹ فلم سے فلمی دنیا میں قدم رکھا۔

تیور کی نمایاں کاسٹ میں سکینہ خان، تقی احمد اور متھیرا شامل ہیں۔ فلم کا بجٹ محض 75 لاکھ ہے۔ یاد رہے کہ ابوعلیحہ کی ہارر فلم کتاکشا کا بجٹ بھی 95 لاکھ تھا جس نے باکس آفس پر دوکروڑ سے زائد کا بزنس کیا۔

راونڈ اباوٹ

اداکار و ہدایت کار ارباز خان کی ایکشن فلم راونڈ اباوٹ بھی 26 جولائی کو پاکستان بھر میں ریلیز ہورہی ہے۔

فلم کی نمایاں کاسٹ میں ارباز خان کے علاوہ ماہی خان اور افتخار ٹھاکر شامل ہیں۔ فلم کا کل بجٹ سوا دو کروڑ روپے بتایا جارہا ہے۔

فلم کی کہانی رومانوی ہے تاہم اس میں ایکشن بھی خوب دکھایا جائے گا۔

جاپان کی نجی کمپنی میں آتش زنی کی واردات سے 33 افراد ہلاک

ٹوکیو: جاپان کے شہر کیوٹو میں مشہور اینی میشن کمپنی میں آتش زنی سے 33 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔

پولیس نے بتایا کہ ایک شخص نے معروف کمپنی ’کیوٹو اینی میشن‘ کی تین منزلہ عمارت میں داخل ہوکر آتش گیر مادے سے آگ لگادی۔ آگ نے تیزی سے دیکھتے دیکھتے پوری عمارت کو اپنی لپیٹ میں لے لیا اور اندر موجود عملے کو باہر نکلنے کا موقع ہی نہ مل سکا۔ آگ سے جھلس کر 33 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے جبکہ ایک شخص لاپتہ ہے۔

واقعے میں زخمی بعض افراد کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔ ملزم خود بھی آگ کی لپیٹ میں آکر زخمی ہوگیا اور پولیس نے اسے گرفتار کرلیا ہے۔ پولیس نے واقعے کی تحقیقات شروع کردی ہیں اور حملہ آور کے مقاصد بھی معلوم کرنے کی کوشش کررہی ہے۔ یہ کمپنی اعلیٰ معیار کی اینی میشن بنانے میں جاپان بھر میں مشہور ہے۔

وہ وجوہات جو انڈوں کو غذا کا لازمی حصہ بنانے پر مجبور کریں

جب بات ناشتے میں انڈے کھانے کی ہو تو ہر ایک کی پسند مختلف ہوسکتی ہے۔

ہارڈ بوائل سے لے کر فرائی اور آملیٹ، غرض متعدد طریقے سے دنیا کے اس مقبول ترین ناشتے سے لطف اندوز ہوا جاسکتا ہے۔

فن لینڈ کی ایسٹرن فن لینڈ یونیورسٹی کی ایک تحقیق کے مطابق ڈوں میں اگرچہ قدرتی طور پر کولیسٹرول کی مقدار کافی ہوتی ہے مگر ان کا استعمال جان لیوا ذیابیطس ٹائپ ٹو کا خطرہ لگ بھگ 40 فیصد تک کم کردیتا ہے۔

تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ انڈے دنیا بھر میں پھیلتی اس وبا کی روک تھام کے لیے اہم کردار ادا کرسکتے ہیں۔

ذیابیطس سے ہٹ کر بھی ایسی متعدد وجوہات ہیں جو آپ کو انڈے کھانے پر مجبور کرنے کے لیے کافی ہیں۔

مکمل پروٹین فراہم کرے

ایک انڈے میں 9 امینو ایسڈز ہوتے ہیں جو پروٹین کے بلڈنگ بلاگ بنانے میں مدد دیتے ہیں، یہ اس لیے اہم ہے کیونکہ ہمارا جسم خود ایسا کرنے سے قاصر ہے، انڈے کی سفیدی میں پروٹین کی مقدار زیادہ ہوتی ہے جبکہ چکنائی اور کولیسٹرول کی مقدار کم ہوتی ہے۔

غذائی اجزا سے بھرپور

انڈوں میں وٹامنز، منرلز، امینو ایسڈز سمیت متعدد غذائی اجزا شامل ہیں جیسے ہائی کوالٹی پروٹین، سلینیم، فاسفورس، کولین، وٹامن بی 12، متعدد اینٹی آکسائیڈنٹس جو خلیات کو صحت مند رکھنے میں مدد دیتے ہیں۔

صحت کے لیے فائدہ مند کولیسٹرول کے لیے مددگار

صحت کے لیے فائدہ مند سمجھے جانے والے کولیسٹرول ایچ ڈی ایل کی سطح ایسے افراد میں زیادہ ریکارڈ کی جاتی ہے جو ایک دن میں 3 یا اس سے زائد انڈے کھاتے ہیں، یقیناً نقصان دہ ایل ڈی ایل کولیسٹرول کی سطح بھی بڑھتی ہے، مگر فائدہ مند کولیسٹرول اسے نقصان پہنچانے سے روکتا ہے۔

ٹرائی گلیسڈرز کی سطح کم کرے

ٹرائی گلیسڈرز کی سطح میں کمی صحت میں بہتری آتی ہے، انڈے کھانے کی عادت مخصوصی فیٹی ایسڈز (جیسے اومیگا تھری) کی سطح بڑھاتی ہے، جس سے ٹرائی گلیسڈر کی سطح کم ہوتی ہے۔

فالج کا خطرہ کم کرے

مختلف طبی تحقیقی رپورٹس کے مطابق روزانہ ایک انڈا کھانا فالج کا خطرہ کم کرتا ہے، حال ہی میں ایک چینی طبی تحقیق میں دریافت کیا گیا جو لوگ روزانہ ایک انڈا کھاتے ہیں، ان میں دماغی شریان یا برین ہیمرج کا خطرہ 30 فیصد تک کم ہوجاتا ہے۔

کیلوریز کنٹرول کرنے میں مددگار

ایک انڈے میں 70 کیلوریز ہوتی ہیں اور بہت آسانی سے جل بھی جاتی ہیں، جس سے موٹاپے کا خطرہ بھی کم ہوتا ہے۔

سستی غذا

یہ بتانے کی ضرورت نہیں کہ انڈے عام طور پر بہت زیادہ مہنگے نہیں ہوتے اور 10 سے 20 روپے کے اندر انہیں آسانی سے خریدا جاسکتا ہے۔

دل کے لیے صحت بخش

جو لوگ زیادہ انڈے کھاتے ہیں، ان میں امراض قلب کا خطرہ نہیں بڑھتا، ایسے افراد میں بھی جو ذیابیطس ٹائپ ٹو کے شکار ہوں، جبکہ انڈوں کو کھانا صحت مند وزن برقرار رکھنے میں بھی مدد دیتا ہے۔ ایک تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ روزانہ ایک انڈا کھانا امراض قلب کا خطرہ انڈوں سے دور رہنے والوں کے مقابلے میں 20 فیصد کم ہوتا ہے۔

پیٹ کو زیادہ دیر تک بھرے رکھے

ناشتہ میں انڈے کو کھانا پیٹ کو زیادہ دیر تک بھرے رکھتا ہے، ایک تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ جو نوجوان ناشتے میں ایک انڈا کھاتے ہیں، وہ دوپہر کے کھانے میں 130 کیلوریز کم جسم کا حصہ بناتے ہیں۔

بینائی کے لیے مددگار

انڈوں میں موجود اینٹی آکسائیڈنٹس آنکھوں کے امراض جیسے موتیا اور عمر بڑھنے سے آنے والی کمزوری سے بچانے میں مدد دیتے ہیں، ویسے سبز پتوں والی سبزیاں بھی یہ کام کرتی ہیں مگر انڈے زیادہ بہتر ہوتے ہیں، کیونکہ ان میں موجود چکنائی جسم کے لیے غذائی اجزا کو استعمال کرنا آسان بنادیتی ہے۔

دماغ تیز کرے

انڈوں میں موجود وٹامن ڈی دماغ کے گرے میٹر کے لیے فائدہ مند ہے جبکہ کولین نامی جز اعصاب کو مضبوط بنانے میں مدد دیتا ہے، یہ جز حاملہ خواتین کے لیے بھی ضروری ہے جو بچوں کی نشوونما میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔

نوٹ: یہ مضمون عام معلومات کے لیے ہے۔ قارئین اس حوالے سے اپنے معالج سے بھی ضرور مشورہ لیں۔

بہت زیادہ میٹھا کھانا جلد کو کیسے متاثر کرتا ہے؟

اس بات سے انکار ممکن نہیں کہ بیشتر افراد کو میٹھا کھانا بہت پسند ہوتا ہے۔

درحقیقت شکر یا چینی سے بنی اشیا کو ہم چائے کے ساتھ کھانا پسند کرتے ہیں اور لگ بھگ روزانہ بہت زیادہ مقدار میں چینی جزو بدن بنالیتے ہیں۔

میٹھی اشیا کا ذائقہ اچھا لگتا ہے مگر اس کی بہت زیادہ مقدار جزوبدن بنانا جسم کے لیے متعدد مسائل کا باعث بنتا ہے اور جلد تو خاص طور پر متاثر ہوتی ہے۔

رات کے وقت میٹھا کھانے کا نقصان

اگر آپ کو رات کے کھانے کے بعد کچھ میٹھا کھانا پسند ہے تو صبح اٹھنے کے بعد آئینے میں یہ ضرور دیکھ لیں کہ آئسکریم (یا جو کچھ بھی میٹھا کھایا ہے) اس کا اثر نیند کے دوران جلد پر کیا مرتب ہوا ہے۔

طبی ماہرین کے مطابق چینی ورم بڑھانے کا باعث بنتی ہے یا یوں کہہ لیں کہ چینی کھانے سے جسم کے اندر ورم پیدا ہوسکتا ہے، اگر اس کی بہت زیادہ مقدار کا استعمال کیا جائے تو یہ چینی براہ راست معدے میں جاتی ہے اور پراسیس ہوکر دوران خون میں شامل ہوجاتی ہے، جو ورم کا باعث بنتا ہے۔

یہ ورم اس وقت ہوتا ہے جب آپ میٹھے کے ساتھ ہائی گلیسمک انڈیکس والی غذاﺅں کا استعمال کرتے ہیں جو مخصوص جلدی عوارض کا باعث بنتا ہے، ایسی غذائیں جیسے سفید ڈبل روٹی، سافٹ ڈرنکس، ٹافیاں اور دیگر بیکری سے بنی اشیا، جو ریفائن اور پراسیس شکر اور نشاستہ سے بنتی ہیں، جو انسولین کو بڑھانے کا باعث بنتی ہیں۔

ماہرین کے مطابق جب کوئی فرد میٹھا کھاتا ہے تو انسولین کی سطح بڑھتی ہے جس کے نتیجے میں جلد پر ورم میں بھی اضافہ ہوتا ہے اور یہ ورم ہی کیل مہاسوں کا بنیادی سبب بھی بنتا ہے۔

بہت زیادہ چینی کھانے سے جلد کے دیگر امراض کی شدت بھی بڑھ جاتی ہے جیسے چنبل، خارش اور دیگر، اگر آپ کو کسی بھی قسم کا ورم کا مسئلہ درپیش ہے تو زیادہ مقدار میں چینی کھانے سے گریز کرنا چاہیے۔

اور ہان زیادہ میٹھا کھانا جلد کو قبل از وقت بوڑھا بھی کردیتی ہے اور اس سے بچنے کے لیے میٹھے سے گریز ہی موثر طریقہ کار ہے۔

زیادہ میٹھا کھانے سے جلد کی عمر بڑھنے کی رفتار بڑھ جاتی ہے کیونکہ کولیگن اور الیسٹن فائبر کی سطح جسم میں گھٹنے لگتی ہے، اور چہرہ جوانی میں ہی کسی بوڑھے فرد کی طرح نظر آنے لگتا ہے۔

بچنا کیسے ممکن؟

اچھی کبر یہ ہے کہ آپ کو جلد کی صحت بہتر رکھنے اور درمیانی عمر میں جوان نظر آنے کے لیے مکمل طور پر میٹھے کو غذا سے نکالنے کی ضرورت نہیں، بس اپنی غذا کا خیال رکھنے کی ضرورت ہوتی ہے۔

طبی ماہرین کے مطابق غذاﺅںجیسے پھلوں اور سبزیوں میں موجود قدرتی مٹھاس اور ایڈڈ شوگر (چینی) میں فرق ہوتا ہے اور قدرتی غذاﺅں کا استعمال جسم کو مٹھاس کے ساتھ مختلف غذائی اجزا بھی فراہم کرتا ہے جبکہ شفاف اور صحت مند جلد کا حصول بھی ممکن ہوجاتا ہے۔

پھلوں کے استعمال سے جسم کو قدرتی مٹھاس کے ساتھ فائبر اور پانی بھی ملتا ہے، جس سے نظام ہاضمہ اور شکر کے جذب ہونے کے عمل کو سست کرتا ہے، جس سے بلڈ شوگر کی سطح بہت تیزی سے اوپر نہیں جاتی۔

اس کے مقابلے میں چینی اور سادہ کاربوہائیڈریٹس کے استعمال سے گریز کریں، مگر مکمل ترک کرنے کی ضرورت نہیں، بس 6 چائے کے چمچ چینی (عالمی ادارہ صحت نے اتنی مقدار کا مشورہ دیا ہے) سے زیادہ استعمال کرنے سے گریز کریں۔

نوٹ: یہ مضمون عام معلومات کے لیے ہے۔ قارئین اس حوالے سے اپنے معالج سے بھی ضرور مشورہ لیں۔

شہبازشریف کی للکار ۔۔۔حقیقت یا افسانہ

شہبازشریف پر مبینہ کرپشن چارجز سے متعلق برطانوی جریدے میل ;200;ن سنڈے یا ڈیلی میل نے جو تحقیقاتی رپورٹ شاءع کی ہے اس کے تناظر میں کئی گریں کھولنے کی ضرورت ہے اس سے قبل شریف خاندان کی برطانیہ میں جائیدادوں کے حوالے سے کئی رپورٹس شاءع ہوچکی ہیں جس میں اسی اخبار ڈیلی میل کی24 جون 2018 کی رپورٹ بھی شامل ہے جس میں میاں نواز شریف اور انکے بیٹوں کی 32 ملین پونڈز کی برطانیہ میں جائیدادوں کا انکشاف ہے شریف خاندان نے اس سے پہلے ان رپورٹوں کے بارے میں کوئی قانونی کارروائی نہ کرکے اخبار کی رپورٹس پر مہر تصدیق ثبت کردی ہے ۔ ;200;ج بھی ایسا ہی لگ رہا ہے کہ پوری مسلم لیگ ن اور پھر شہبازشریف کا برطانوی اخبار کے خلاف جارحانہ انداز محض بیان بازی ہے یا چیخ وپکار ہے جو وقتی طور پر اپنے خلاف برپا ہونے والے بھونچال کو صرف زبانی کلامی روکنا ہی ہے ۔ برطانیہ میں کسی بھی شخص کی ہرزہ سرائی یا اس کے خلاف بے بنیاد الزامات لگانے والوں کے لئے قانون کی تلوار موجود ہے اور برطانیہ کا ہتک عزت کا قانون تمام دولت مشترکہ کے ممالک میں بھی اسی طرح لاگو ہے اب دیکھنا یہ ہے کہ شہبازشریف عدالت کا دروازہ کٹھکائیں گے یا نہیں شہبازشریف کا موقف ہے کہ انکے خلاف اخبار میں یہ من گھڑت کہانی وزیراعظم پاکستان عمران خان اور انکے مشیر شہزاد اکبر کی ملی بھگت ہے ۔ اور کہانی کا رپورٹر ڈیوڈ روز عمران خان سے ملاقات کرچکا ہے اس حوالے سے شہادت کے طور پر مسلم لیگ کی ترجمان مریم اورنگزیب نے ایک تصویر وزیراعظم کے ساتھ صحافی کی دکھائی ہے جس کے بارے میں کہا جا رہا ہے کہ وہ ایک سال پرانی ہے ۔ اخبار کا بنیادی الزام یہ ہے کہ برطانوی ڈیپارٹمنٹ ;200;ف انٹرنیشنل اینڈ فارن ٹریڈ جو امداد ی رقم زلزلہ زدگان کے لئے فراہم کی اس کو زاتی ضرورتوں کے لئے استعمال کیا گیا اور اس رقم کو ہنڈی اور ٹی ٹی کے زریعے واپس منتقل کیا گیا اور یہاں اسی رقم سے شہبازشریف فیملی نے مختلف جائیدادیں خریدیں یہ بھی سننے میں ;200;یا ہے کہ اس برطانوی اخبار کے انکشافات کے بعد پاکستان میں پاکستان میں شہباز شریف کئی جائیدادیں نیپ نے تحویل میں لینے کا فیصلہ کیا ہے اس کا مطلب یہ ہے کہ لوٹی ہوئی دولت واپس لینے کا ;200;غاز ہوگیا ہے ۔ برطانیہ میں ہتک عزت کا قانون 1207 سے موجود ہے 2014 میں باقاعدہ پارلیمنٹ نے اس قانون کو ایک بل کی صورت میں پاس کیا تھا یہ ;200;زادی اظہار رائے کے متعلق بھی ہے ہتک عزت کا دعویٰ ہر وہ شخص ہائی کورٹ میں جاکر کر سکتا ہے جس کی شہرت، تجارت یا عزت پر کسی کے عمل سے اسے نقصان ہو -شہبازشریف اگر ڈیلی میل کے خلاف ہتک عزت کا دعوی کریں اور اخبار کے خلاف مقدمہ جیت جائیں تو نہ صرف انکی اپنی نیک نامی ہوگی بلکہ پاکستان ہمارے ملک کی جو بدنامی ہوئی ہے جو دھبہ لگا ہے ان کے اس عمل سے ملک کا امیچ بہتر ہوگا لیکن قانونی پیچیدگیوں کے باعث لگتا نہیں کہ شہبازشریف واقعی اخبار کے خلاف قانونی چارہ جوئی کریں گے لندن میں مقیم برطانوی ماہر قانون اور پہلے برٹش پاکستانی کوئین کونسل کے رکن بیرسٹر صبغت اللہ قادری کا کہنا ہے کہ شہبازشریف اخبار کے خلاف قانونی چارہ جوئی نہیں کریں گے چونکہ اخبار کے پاس سارے ثبوت موجود ہونگے اور اگر مقدمہ ہوا تو شہباز شریف کی اہلیہ بیٹا، داماد اور دیگر تمام افراد عدالتی کارروائی کا حصہ ہونگے جن کا زکر اخبار میں موجود ہے جن پر جج جرح کرے گا قانونی طور پر اس مقدمے کا فیصلہ ;200;نے میں کئی ماہ لگ سکتے ہیں مقدمہ ہائی کورٹ کا جج سنے گا جج پبلک جیوری تشکیل دینے کا بھی ;200;رڈر کرسکتا ہے فیصلہ شواہد کے تحت اور الزامات کو غلط ثابت کرنے کی بنیاد پر ہوگا ;34;یاد رہے کہ ماضی میں پاکستان کے وزیراعظم عمران خان پر 96-1995 میں سابق انگلش کرکٹرز اور کپتان ;200;ئن بوتھم اور ایلن لیمب نے ہتک عزت کا ایک دعویٰ کیا تھا کہ عمران خان پر الزام یہ عائد کیا گیا تھا کہ عمران خان نے انگلش کرکٹرز کو نسلی تعصب برتنے اور بال ٹمپرنگ کرنے والے کہا تھا عمران خان نے اپنا دفاع برطانوی عدالت میں ڈٹ کر کیا تھا اور عدالت نے انگلش کرکٹرز کو جھوٹا قرار دیا تھا اور عمران خان کو صادق اور ;200;مین قرار دیا تھا یہ کرکٹ کی تاریخ کا مہنگا ترین مقدمہ تھا جس پر پانچ لاکھ پونڈز خرچ ہوئے تھے مقدمے کا فیصلہ 15 اگست 1996 میں ;200;یا تھا مقدمہ ڈھائی ہفتے مسلسل چلا تھا ۔ میری دعا ہے کہ شہبازشریف مقدمہ برطانوی عدالت میں ضرور کریں لیکن شاید وہ ایسا نہیں کریں گے برطانوی معاشرہ انصاف کی بنیاد پر قائم ہے یہاں نہ کوئی ملک قیوم ہے نہ جسٹس سعید الزمان صدیقی ہے ۔

کراچی سے پراپرٹی ٹیکس جمع کرنے کیلیے 33.6 ارب روپے کا منصوبہ

کراچی: سندھ حکومت ورلڈ بینک کی مدد سے آئندہ سال سے33.6ارب روپے کا مسابقتی اورپائیدار کراچی شہر کا منصوبہ شروع کررہی ہے جو5 سال میں مکمل ہوگا۔

وزیراعلیٰ سندھ نے ورلڈ بینک کی قائم مقام کنٹری ڈائریکٹر مس میلنڈا گوڈس کی قیادت میں2 رکنی وفدکے ساتھ اجلاس کے موقع پر کہا ہے کہ سندھ حکومت کراچی شہر کا منصوبہ شروع کررہی ہے جو5 سال میں مکمل ہوگا۔ منصوبے کا مقصد کراچی میٹروپولیٹن کارپوریشن اور تمام6 ضلعی میونسپل کارپوریشن، ڈسٹرکٹ کونسل کراچی اور محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کے ساتھ شہر میں تفصیلی پراپرٹی سروے کے حوالے سے تعاون کرنا ہے۔ وفد میں مس امینہ راجا سینئر ورلڈ بینک آپریشن آفیسر بھی شامل تھیں۔

انہوں نے بتایا کہ صوبائی محکمہ سرمایہ کاری کے ساتھ اس منصوبے کے تحت کاروبار کو سہل بنانے کے حوالے سے مثبت اقدامات کے لیے تعاون کیا جائے گا۔

اجلاس میں صوبائی وزیر بلدیات سعید غنی، چیف سیکریٹری ممتاز شاہ، چیئرپرسن پی اینڈ ڈی ناہید شاہ، وزیراعلیٰ کے پرنسپل سیکریٹری ساجد جمال ابڑو، سیکریٹری بلدیات خالد حیدر شاہ ودیگر نے شرکت کی۔

وزیراعلیٰ نے چیف سیکریٹری سندھ کو ہدایت کی کہ وہ کے ایم سی، ڈی ایم سیز، ضلعی کونسل اور محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کے ساتھ ایک مشترکہ اجلاس منعقد کریں تاکہ پراپرٹی ٹیکس جمع کرنے کے حوالے سے باضابطہ طورپر حکمت عملی وضع کی جاسکے۔

مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ میں شہر میں لوکل باڈیز کومالی طورپر مستحکم کرنے کا خواہاں ہوں تاکہ وہ کافی حد تک خود کفیل ادارے بن سکیں۔ اس منصوبے کے تحت متعلقہ لوکل باڈیز کی پراپرٹی ٹیکس جمع کرنے کے حوالے سے استعداد کار میں اضافہ کیاجائے گا۔

وزیراعلیٰ نے کہا کہ منصوبے کی اہم کوآرڈی نیٹنگ ایجنسی صوبائی محکمہ بلدیات ہوگا۔ پروجیکٹ مینجمنٹ یونٹ قائم کیا جائے گا تاکہ کراچی کی لوکل کونسلز کو فنی امداد فراہم کی جا سکے۔

شیاؤمی کا ایک اور مڈرینج فون متعارف

چینی کمپنی شیاﺅمی نے اپنی اینڈرائیڈ ون اسمارٹ فون سیریز کا نیا فون می اے 3 متعارف کرا دیا ہے۔

یہ فون 2 ورژن میں دستیاب ہوگا، ایک ورژن میں 6 جی بی ریم، 64 جی بی اسٹوریج جبکہ دوسرے میں 6 جی بی ریم اور 128 جی بی اسٹوریج دی گئی ہے، اسٹوریج بڑھانے کے لیے مائیکرو ایس ڈی کارڈ سپورٹ بھی فون میں موجود ہے۔

6.1 انچ کے او ایل ای ڈی اسکرین والے فون میں واٹر ڈراپ نوچ دیا گیا ہے جبکہ 720p ریزولوشن دی گئی ہےحالانکہ گزشتہ سال می اے 2 میں 1080p ریزولوشن دیا گیا تھا۔

فون میں اسنیپ ڈراگون 665 پراسیسر دیا گیا ہے جبکہ4030 ایم اے ایچ بیٹری 18 واٹ فاسٹ چارجنگ سپورٹ کے ساتھ دی گئی ہے، گزشتہ سال کے فون میں 3000 ایم اے ایچ بیٹری دی گئی تھی۔

اور ہاں فون میں ہیڈفون جیک کی واپسی ہوئی ہے جبکہ فنگرپرنٹ ریڈر کو اسکرین کے اندر منتقل کردیا گیا ہے۔

فون میں ایک نمایاں اپ گریڈ کیمرا سسٹم میں ہوئی ہے۔

اس کے بیک پر 3 کیمروں کا سیٹ اپ ہے جن میں 48 میگا پکسل کا مرکزی کیمرا ، 8 میگا پکسل کا الٹرا وائیڈ اینگل کیمرا جبکہ 2 میگا پکسل ڈیپتھ سنسر کیمرا دیا گیا ہے۔

بیک کیمروں سے 2160p ویڈیو کو 30 فریم فی سیکنڈ پر ریکارڈ کیا جاسکتا ہے جبکہ فرنٹ پر 32 میگا پکسل سیلفی کیمرا موجود ہے۔

یہ فون آئندہ ہفتے سب سے پہلے اسپین میں فروخت کے لیے پیش کیا جائے گا جس کے بعد یہ دیگر ممالک میں متعارف کرایا جائے گا۔

اس کا 6 جی بی ریم اور 64 جی بی اسٹوریج والا فون 249 یورو (44 ہزار پاکستانی روپے سے زائد) جبکہ 6 جی بی ریم اور 128 جی بی اسٹوریج والا ورژن 279 یورو (لگ بھگ 50 ہزار روپے) میں فروخت کیا جائے گا۔

Google Analytics Alternative