Home » Author Archives: Admin (page 13)

Author Archives: Admin

پنجاب کے انکار پر پاسکو کا خیبر پختون خوا اور سندھ کو گندم دینے کا فیصلہ

لاہور: وزیر اعظم کے حکم پر ’’پاسکو‘‘ نے 1468 روپے فی من قیمت پر سندھ اور خیبر پختونخوا کو گندم فروخت کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت گندم اور آٹے کی صورتحال کا جائزہ لینے کیلیے اعلی سطح اجلاس ہوا جس میں پنجاب اورخیبر پختونخوا کے وزرائے اعلی، چیف سیکرٹریز، صوبائی وزرا اور دیگرحکام نے شرکت کی، پنجاب نے وزیر اعظم کے روبرو خیبر پختونخوا حکومت کے گندم کے حصول کے مطالبے کو تسلیم کرنے سے معذرت کرلی۔

وزیر اعلی پنجاب اور صوبائی وزرانے موقف اختیار کیا کہ پنجاب کے پاس اپنی ضروریات کے مطابق گندم موجود ہے دونوں صوبوں کو گندم کی خریداری کیلیے ’’پاسکو‘‘ سے معاملات طے کرنا چاہئیں جس کے بعد وزیر اعظم کے حکم پر ’’پاسکو‘‘ نے 1468 روپے فی من قیمت پر سندھ اور خیبر پختونخوا کو گندم فروخت کرنے کا فیصلہ کیا ہے، وفاقی حکومت  200 روپے فی من سبسڈی برداشت کرے گی۔

وزیراعظم عمران خان نے فلور ملزکی جانب صوبائی حکومتوں اور عسکری اداروں کیلیے آٹے کی تیاری کیلیے گندم کی پسائی کے نرخوں میں نمایاں فرق کا نوٹس لیتے ہوئے صوبائی حکومتوں کو فوری طور پر فلورمل مالکان کے ساتھ مذاکرات کر کے اوپن مارکیٹ میں آٹے کی قیمتوں میں کمی لانے کا حکم دیا ہے۔

گزشتہ روزاجلاس کے دوران ملتان سے تعلق رکھنے والی ایک کسان تنظیم ’’فارمرز وڑن فورم‘‘ کے عہدیدار خواجہ شعیب نے نکتہ اٹھایا کہ فلور ملز عسکری اداروں کو کم قیمت پر گندم پیس کر دیتی ہیں جبکہ حکومت کے ساتھ آٹے کی قیمت کے تعین کے وقت زیادہ گرائنڈنگ چارجز شامل کیے جاتے ہیں۔

’’ایکسپریس‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان فلورملز ایسوسی ایشن کے مرکزی چیئرمین عاصم رضا نے کہا کہ وزیر اعظم کو گندم کی پسائی کے اخراجات کے حوالے سے گمراہ کن اعدادوشمار دیے گئے ہیں، عسکری اداروں کیلیے فلورملز جو گندم کی پسائی کرتی ہیں اس میں پیکنگ کا تھیلا عسکری انتظامیہ فراہم کرتی ہے جبکہ چوکر بھی نہیں نکالا جاتا، فوجی ٹرک گندم مل میں خود لاتے اور لیجاتے ہیں، حکومت اگر گندم کی پسائی کا کوئی نیا نظام لانا چاہتی ہے تو ہمیں قبول ہے نئے گرائنڈنگ چارجز طے کرنا ہوں گے۔

معروف گلوکارہ کے سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر برہنہ تصاویر جاری کردی گئیں

شہرت یافتہ امریکی گلوکارہ و اداکارہ ڈیمی لواٹو اگرچہ منشیات استعمال کرنے کی عادت کی وجہ سے خبروں میں رہتی ہیں، تاہم اس بار وہ اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ ہیک ہونے کی وجہ سے خبروں کی زینت بنیں۔

خبریں ہیں کہ پاپ گلوکارہ ڈیمی لواٹو کے اسنیپ چیٹ اکاؤنٹ کو ہیک کرکے اس پر اداکارہ کی انتہائی نامناسب ویڈیوز اور برہنہ تصاویر شیئر کردی گئیں۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ ڈیمی لواٹو کے مبینہ ہیک ہوجانے والے اسنیپ چیٹ اکاؤنٹ پر ایک گھنٹے تک فحش ویڈیوز اور برہنہ تصاویر موجود رہیں۔

برطانوی اخبار ’دی انڈیپنڈنٹ‘ نے اپنی رپورٹ میں امریکی اخباروں کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ ڈیمی لواٹو کا اکاؤنٹ مبینہ طور پر ایک سافٹ ویئر ہاؤس کی جانب سے ہیک کرکے اس پر برہنہ ویڈیوز اور تصاویر شیئر کی گئیں۔

گلوکارہ پر حد سے زیادہ نشے کرنے کے الزامات بھی لگائے جاتے رہتے ہیں—فوٹو: اے ایف پی
گلوکارہ پر حد سے زیادہ نشے کرنے کے الزامات بھی لگائے جاتے رہتے ہیں—فوٹو: اے ایف پی

اسنیپ چیٹ اکاؤنٹ پر شیئر کی جانے والی برہنہ تصاویر میں سے بہت ساری تصاویر ڈیمی لواٹو کی ذاتی تصاویر تھیں اور انہوں نے کبھی بھی انہیں شیئر نہیں کیا تھا۔

ساتھ ہی انسٹاگرام پر ان کی کچھ خاص نامناسب ویڈیوز سمیت فحش ویڈیو بھی شیئر کردی گئیں۔

گلوکارہ کا اکاؤنٹ ہیک کیے جانے اور ڈیمی لواٹو کی تصاویر اور ویڈیوز شیئر کیے جانے کے بعد ان کے مداحوں نے ان کا دفاع کیا اور سوشل میڈیا کر ہیکرز کے خلاف مہم شروع کردی، جس کے بعد گلوکارہ کا اکاؤنٹ بھی بحال ہوگیا۔

ڈیمی لواٹو پر گزشتہ برس اپنی ساتھی ڈانسر کو بھی نشہ دینے کا الزام لگا تھا—فوٹو: یپلز میگزین
ڈیمی لواٹو پر گزشتہ برس اپنی ساتھی ڈانسر کو بھی نشہ دینے کا الزام لگا تھا—فوٹو: یپلز میگزین

ڈیمی لواٹو کی حمایت کرنے والے افراد کا کہنا تھا کہ ہیکرز کو گلوکارہ کی عزت اور پرائیویسی کا خیال رکھنا چاہیے، ان کی نامناسب تصاویر اور ویڈیوز کو یوں شیئر کرنا مناسب نہیں۔

دوسری جانب جس گروپ پر گلوکارہ کے اکاؤنٹ ہیک کرنے کے الزامات لگائے جا رہے ہیں، اس گروپ نے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ کبھی بھی غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث نہیں رہا۔

یہ پہلا موقع نہیں ہےکہ کسی معروف اداکارہ کے سوشل میڈیا اکاؤنٹ کو ہیک کرکے اس پر فحش ویڈیوز اور برہنہ تصاویر جاری کی گئی ہوں۔

اس سے قبل بھی متعدد شخصیات کے سوشل میڈیا اکاؤنٹس کو ہیک کرکے ان پر نامناسب مواد شیئر کیا جاتا رہا ہے۔

اداکارہ منشیات کے عادی ہونے کا اعتراف کرچکی ہیں—فوٹو: ڈیمی لواٹو انسٹاگرام
اداکارہ منشیات کے عادی ہونے کا اعتراف کرچکی ہیں—فوٹو: ڈیمی لواٹو انسٹاگرام

ڈیمی لواٹو خود بھی سوشل میڈیا پر متحرک رہتی ہیں اور سوشل میڈیا ایپس اور سائٹس پر اپنی بولڈ اور نیم عریاں تصاویر شیئر کرتی رہتی ہیں۔

انہیں حد سے زیادہ منشیات استعمال کرنے کی وجہ سے بھی تنقید کا نشانہ بنایا جاتا رہا ہے، گزشتہ برس انہیں حد سے زیادہ منشیات استعمال کرنے کی وجہ سے تشویش ناک حالت میں ہسپتال منتقل کیا گیا تھا اور وہ مرتے مرتے بچی تھیں۔

گلوکارہ خود بھی شراب، چرس اور ہیروئن سمیت دیگر اقسام کا نشہ کرنے کا اعتراف کر چکی ہیں۔

چھبیس سالہ ڈیمی لواٹو نے بطور چائلڈ آرٹسٹ ہی اپنا کیریئر شروع کیا، انہوں نے پہلے پہل ٹیلی وژن پر اداکاری کی، بعد ازاں انہوں نے گلوکاری اور شاعری میں بھی قسمت آزمائی۔

اب تک ڈیمی لواٹو 9 سے زائد فلموں اور 2 درجن سے زائد ڈراموں بھی اداکاری کے جوہر دکھا چکی ہیں۔

ڈیمی لواٹو اب تک 6 میوزک ایلبم ریلیز کرنے سمیت درجنوں گانے بھی ریلیز کر چکی ہیں۔

بعد ازاں گلوکارہ کا اکاؤنٹ بحال کرادیا گیا—فوٹو: اے ایف پی
بعد ازاں گلوکارہ کا اکاؤنٹ بحال کرادیا گیا—فوٹو: اے ایف پی

بچے کو سینے سے چمٹائے تارکین وطن ماں کی 10 دن پرانی لاش نے سب کو رلا دیا

روم: سمندر کی تہہ میں ماں کے اپنے شیر خوار بچے کو سینے سے چمٹائے 10 دن پرانی لاش برآمد ہونے پر غوطہ خور رو پڑے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق اٹلی میں تیونس سے آنے والی تارکین وطن کی کشتی 10 روز قبل بحیرہ روم میں ڈوب گئی تھی۔ غوطہ خوروں کی ایک ٹیم کو سمندر میں 60 میٹر گہرائی میں کشتی کے ملبے سے ایک خاتون کی لاش ملی۔

غوطہ خوروں کا کہنا ہے کہ ماں نے اپنے بچے کو ڈوبنے سے بچانے کے لیے اپنے سینے سے چمٹائے رکھا ہوا تھا اور دس دن بعد بھی ماں بچہ اسی حالت میں مردہ پائے گئے۔ اس منظر نے انہیں رلا دیا۔ غوطہ خور ماں اور بچے کی لاش کو بہ مشکل ایک دوسرے سے علیحدہ کیا۔ یہ واقعہ ماں کی اپنی اولاد سے لازوال محبت کی ایک مثال ہے۔

غربت سے پریشان اپنے اور بچوں کے اچھے مستقبل کے لیے تارکین وطن غیر قانونی طور پر خوشحال ممالک کا رخ کرتے ہیں اور اس دوران کشتی الٹنے کے واقعات میں کئی قیمتی جانیں ضائع ہوجاتی ہیں۔ ساحل پر مردہ پائے گئے شام کے ایلان، میکسیکو کے باپ بیٹی جو ایک دوسرے سے لپٹے ہوئے اور اب بحیرہ روم کے اس واقعے نے دنیا کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا ہے۔

واضح رہے کہ 10 روز قبل تیونس سے اٹلی جانے کی کوشش میں کشتی بحیرہ روم میں ڈوب گئی تھی جس میں 50 افراد سوار تھے جن میں سے 22  کو بچالیا گیا تھا جب کہ 28 مسافر ڈوب گئے تھے جن میں اکثریت بچوں اور خواتین شامل ہیں۔

دھرنا سیاست !

یاست دانوں کی قلابازیوں اور مفاد پرستی نے معاشرے میں بگاڑ پیدا کردیا ہے ۔ اخلاقی دیوالیہ پن کی وجہ سے ہمارا معاشرہ بگاڑ کا شکار ہو چکا ہے ۔ قومی سلامتی کو داوَ پر لگانے کیلئے تدبیریں ہو رہی ہیں اور ذاتی مفاد کیلئے غریب بچوں کو بطور ڈھال استعمال کرنے کا سوچا جارہا ہے ۔ ذاتی مفاد کیلئے یہ کسی بھی حد تک جا سکتے ہیں ۔ دنیا بہت آگے نکل گئی ہے اور ہم ابھی تک دھرنے اور احتجاجات میں الجھے ہوئے ہیں دیکھا جائے تو ہمارے سامنے نظر آنے والے سیاسی چہرے ناکام ہوگئے ہیں اور ملک کی معاشی تباہی کے یہ سب ذمہ دار ہیں ۔ مفاد پرستی ، چاپلوسی اور انفرادی سوچ اور طرز سیاست نے ملک و قوم کے مستقبل کو سوالیہ نشان بنا دیا ہے ۔ روا داری نام کی نہیں ہے صرف اور صرف مفاد پرستی ہے جس کی وجہ سے عام آدمی کو زندگی گزارنا مشکل ہوگیا ہے ۔ اور کی سیاست کی جاتی ہے مختلف کارڈ اور مقدس عنوانات کو استعمال کیا جاتا ہے اور جب مقصد پورا ہو جاتا ہے تو اسے پس پشت ڈال دیا جاتا ہے ۔ لالچ،ہوس اور حرص نے انسان کوحیوانیت کے درجے سے بھی گرادیا ہے انسان کے انسان کی غم گیری مفقود ہوگئی ہے اور اسکی جگہ خود غرضی نے لے لی ہے آخر ایسا کیوں ہے ;238;اس کا صاف اور واضح جواب یہ ہے کہ ہماری طرز سیاست غلط ہے اور غلط ہاتوں میں ہے کوئی جاگیر کی بنیاد پر سیاست کرتا ہے اور کوئی اپنی سیاست کو دولت سے چمکاتا ہے اور کوئی مذہب کا نام لیکر اپنے لیئے سیاسی راستہ ہموار کرتا ہے ۔ سب جھوٹ بولتے ہیں ، پروپیگنڈے کرتے ہیں ، عوام کو سبز باغ دکھا کر انھیں قائل کرتے ہے اور ان کی جیب کاٹ کر ان کا سکون غارت کرتے ہیں اور محض نعرے لگا کر من موجی ہونے کا ثبوت دیتے ہیں ۔ ظلم اور تشدد کی سیاست ،سرمایہ داری اور سرمایہ داریت کی سیاست اور منافقت اور فرقہ واریت کی سیاست نے کبھی دانشوری اور روشن خیالی کا ڈھول پیٹ کر ،کبھی فلسفی کے روپ میں آکر کبھی عقیدے اور مسلک کا جھگڑا لیکر کبھی زمیندار کی شکل میں کبھی مذہب کی آڑ لیکر کبھی روحانیت کاجبہ اوڑھ کر کبھی بے دینی کا پرچار کرکے کبھی سائنسی ترقیات کے نام پر کبھی تاجر کی شکل اختیار کرکے چہرے آ تے ہیں اور چہرے جاتے ہیں اور بےچارے عوام محو تماشہ ہیں ۔ انسان کا بدترین المیہ یہ ہے کہ آزادی سے محروم رکھ کر ہر دور میں انسان کا غلام بنایاگیا ہے اور اسے مجبور کیا گیا ہے کہ وہ جانوروں کی طرٖح لاچار کی حیثیت سے زندگی گزارے اور اسے ایک قسم کی افیوم دیکر یہ پٹی پڑھائی گئی ہے کہ یہاں کی پروقار زندگی کے بارے میں سوچو بھی نہ ۔ تمہارے لیئے معاشی اور معاشرتی جدوجہد عبث ہے اگر تم بھوک سے مرتے ہو تو مرجاءو ،یہی مرجانا تمہارے لیئے بہتر ہے لیکن صبر کا دامن ہاتھ سے نہ جانے دو ،تمہارے یہاں کی تکلیف ہی میں وہاں کی عیش ہے مالداروں ۔ مالداروں سے لڑ کر اپنی عاقبت مت خراب کرو ۔ صبر کا جو فلسفہ یہاں پیش کیا جاتا ہے اسکے رموز بڑے نرالے ہیں کہا جاتا ہے کہ اپنی اور افلاس کی شکایت اور ظلم اور زیادتی کے خلاف آ واز اٹھانا ایک ایسا عمل ہے جس سے اجر ضائع ہوجاتا ہے اور دوسروں کو ظالم کہنے سے پہلے اپنا محاسبہ ضروری ہے اور اپنے گریبان میں دیکھنا چائیے کہ ہم خود کتنے پانی میں ہیں ،اگر یہاں انصاف نہیں ملتا تو نہ ملے وہاں ضرور انصاف ہوگا ،غریب غربت لیکر پیدا ہوتا ہے ،یہ اسکی اپنی قسمت ہے اور یہی غربت اسے آخرت نعمت بھی ہے اور مالدار بھی اپنی قسمت کے ساتھ پیدا ہوتے ہیں ،اور بعض دانشور اور فلسفی یہ اپنے دانش کدے سے یہ فلسفہ بکھیرتے ہیں کہ دنیا نصیب سے ہے اور آخرت محنت سے ،جمود کا یہ فلسفہ بڑا نرالہ ہے اور یہی وہ نظریہ ہے جو قنوطیت کی عکاسی کرتا ہے ان کی دانست میں اقبال نے یوں ہی کہ دہا ہے کہ

تقدیر کے پابند ہیں نباتات وجمادات

مومن فقط احکام الٰہی کا ہے پابند

اگر دیکھا جائے تو عجیب فکسفوں اور نظریات نے انسانی مزاج کا جنازہ نکال دیاہے ، بزدلی کو صبر کے معنی دیدیئے گئے ہیں شاید ایسے ہی فلسفیوں کے لیئے اقبال زاغوں کے تصرف میں عقاب کا نشیمن والی پھبتی کسی ہے ، انفرادیت پسندی کو ایمان کی پختگی کی علامت اور گروہیت اور فرقہ واریت کو مسلمان کی پہچان قرار دیا گیا ہے ،اسکا نتیجہ یہ ہے کہ مسجدوں میں سنگینوں کے سایہ میں نمازادا کی جاتی ہے ،رواداری کے سارے دروازے بند کردئے گئے ہیں ذاتی مفاد ات اور امفرادیت پسندی کی تسکین کیلئے اسلام کے زریں اصولوں کو بھی اپنے تابع بنا کر اس سبق کوبھلا دیا گیا ہے کہ اسلام کل انسانیت کی بھلائی چاہتا ہے یہی وجہ ہے کہ قرآن نے اجتماعی سوساءٹی کو مخاطب کیا ہے ۔ اللہ تعالیٰ کو انسانیت کی ارتقاء مطلوب ہے اور اللہ تعالیٰ انسان تنزلی سے نکال کر ترقی اور فلاح کا راستہ دیکھاتا ہے اور یہی راستہ انسان کیلئے قرآن نے متعین کیا ہے اور اجتماعیت کے ذریعے اس راستے کو حاصل کیا جاسکتا ہے ۔ اجتماعیت اللہ تعالیٰ کو اتنی پسند ہے کہ اپنا تعارف بھی اللہ تعالیٰ نے اجتماعی حوالے سے کرایا ہے ’’رب العالمین،، کے الفاظ کہہ کر بیان کیا گیا ہے کہ وہ اللہ کی ذات پوری اجتماع کو پالنی والی ہے پیغمبر اسلامﷺنے بھی اپنی دعوت کے حوالے سے ہمیشہ اجتماعیت کی بات کی ہے کسی جگہ فرمایا گیا ہے کہ تمام انبیاء ایک دعوت لیکر آئے ہیں کہیں فرمایا ہے کہ میں جو اصول لایا ہوں وہ ابراہیمی اصول ہیں کسی مقام پر آپﷺ پچھلی امتوں کی تصدیق کرتے ہیں اور ان کی تعلیمات کا خلاصہ یہ ہے کہ اجتماعیت ہی سے معاشرت کی روح قائم ہوتی ہے ۔ آج ہمارے معاشرے میں اخلاقی دیوالیہ پن کا دور دورہ ہے سرمایہ داریت اور حرص نے انسانیت پر پردے ڈالے ہوئے ہیں اور حیوانیت کو غلبہ حاصل ہوگیا ہے ۔ انسان خواہشات کا تا ابع ہوگیا ہے دولت کی پوجا نے آج کے کو صرف روٹی کا کیڑا بنادیا ہے ،سارا دن وہ روٹی کی تلاش میں وہ مارا مارا پھیرتا اور پھر بھی قلاش ہے یہ سب کچھ کیا ہے ;238; اسکا جواب یہ ہے کہ یہ سب افرادیت پسندی کا شاخسانہ ہے نیک بننے کا جزبہ تو ہم میں ہے لیکن انفرادی پسندی کا نشہ اسکے راستے میں رکاوٹ ہے ۔ کیا حرام کی کمائی پر پلنے والے اور حرام کی کمائی کو شیر مادر کی طرح حلال سمجھنے والوں کے حج اور عمرے انہیں بچاسکیں گے;238; کیا ٹیکس چھپانے والے اور دو نمبر کا مال تیار کرکے بیچنے والوں کے صدقے اور خیرات اور نیکیاں ان کو بچاسکیں گی;238; ۔

بلاول بھٹو زرداری اپنی کرپشن زدہ اداؤں پر غور کریں، فردوس عاشق اعوان

سیالکوٹ: معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ بلاول بھٹو زرداری ہوش کے ناخن لیں اور اپنی کرپشن زدہ اداؤں پر غور کریں۔

لاڑکانہ میں سندھ اسمبلی کے ضمنی انتخاب میں پیپلز پارٹی کو شکست پر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ بلاول بھٹو زرداری ہوش کے ناخن لیں اور اپنی کرپشن زدہ اداؤں پر غور کریں۔ ٹھنڈے دل و دماغ سے سوچیں کہ بھٹو اب لاڑکانہ میں زندہ کیوں نہیں رہا؟، اپنی حکومت میں سرکاری وسائل کے بے دریغ استعمال سے کیے گئے جلسے عوام کے جذبات اور احساسات کی عکاسی نہیں کرتے۔ دو دن پہلے عوام نے اپنے ووٹ کی طاقت سے آپ کے اداروں کو نشانہ بنانے کے بیانیہ کو زمین بوس کیا۔

فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ ہمارے ادارے ہمارا فخر، دفاع اور سلامتی کے ضامن ہیں۔ بلاول بھٹو زرداری پاکستان دشمنوں کے بیانیے سے مرعوب ہونے والے غیر ذمہ دارانہ بیانات سے کن آقاؤں کی خوشنودی حاصل کر رہے ہیں؟ انہیں ملک اور ریاست کا احساس ہوتا تو غیر ذمہ دارانہ بیانات کی فلم نہ چلاتے۔ آپ کو صرف ابو اور پھوپھو کی کرپشن بچانے کی فکر ہے۔

سائنسدان ہر طرح کے ’زکام‘ کی ایک ہی ویکسین تیار کرنے کے قریب

عام طور پر ’نزلہ و زکام‘ کو بڑی بیماری نہیں سمجھا جاتا، تاہم ماہرین صحت کے مطابق بعض مرتبہ اس بیماری کو اہمیت نہ دینے اور اس کا درست اور بروقت علاج نہ کروانے پر سنگین مسائل بھی پیدا ہو سکتے ہیں۔

نزلہ و زکام عام طور پر ’انفلوئنزا‘ نامی وائرس سے پیدا ہوتے ہیں اور یہ وائرس دنیا بھر میں تیزی سے پھیلتا ہے۔

’انفلوئنزا‘ سے عام طور پر سب کو نزلہ و زکام ہوتا ہے، تاہم کئی افراد اس کی وجہ سے سانس، حلق کی نالیوں، پھیپھڑوں اور نظام تنفس کی بیماریوں کا شکار بھی ہوتے ہیں۔

’انفلوئنزا‘ کو وبائی زکام بھی کہا جاتا ہے اور یہ مون سون کے موسم میں پھیلنے والی عام بیماری ہے.

چونکہ یہ وائرس کھلی فضا میں موجود ہوتا ہے اس لئے ایک فرد سے دوسرے میں بآسانی منتقل ہوجاتا ہے. انفلوئنزا وائرس ہوا کے ذریعے انسانی جسم میں داخل ہوتا ہے اور ناک، گلے اور پھیپڑوں کو متاثر کرتا ہے. اس بیماری کی نشانیوں میں بہتی ہوئی ناک، جسم اور گلے میں شدید درد اور بخار شامل ہیں. اس وبائی مرض سے بچنے کے لئے اچھی غذا لینا چاہیے تاکہ جسم کی قوت مدافعت زیادہ مضبوط ہو جو اس وائرس کو ختم کرسکے.

اگرچہ دنیا بھر میں اس وقت بھی ’انفلوئنزا‘ یا نزلہ و زکام سے بچنے اور اس کے علاج کے لیے متعدد دوائیاں موجود ہیں، تاہم اب خبر سامنے آئی ہے کہ ماہرین صحت اس کے لیے ایک ایسی ویکسین تیار کرنے کے قریب پہنچ چکے ہیں جو ہر طرح کے نزلہ و زکام کو ختم کرنے میں مدد دے سکتی ہے۔

سائنس جرنل میں شائع ایک رپورٹ کے مطابق امریکا کی ماؤنٹ سنائی یونیورسٹی کے ماہرین نے دیگر اداروں اور ہسپتالوں کے ماہرین کے تعاون سے ایک ایسا طریقہ کار دریافت کرلیا ہے جسے مستقبل میں ’انفلوئنزا‘ کے خلاف استعمال کیا جا سکتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق ماہرین نے 2017 سے 6 درجن کے قریب رضاکاروں پر نئے طریقہ کار کے تحت ٹیسٹ کیے اور انہیں امید ہوئی ہے کہ یہ نیا طریقہ کار ایک ایسی ویکسین تیار کرنے میں مدد دے سکتا ہے جو ’انفلوئنزا‘ وائرس سے ہونے والے ہر طرح کے نزلہ و زکام میں یکساں مفید ہوگی۔

ماہرین نے بتایا کہ نئے دریافت کیے گئے طریقہ کار پر مزید کام کرنے کی ضرورت ہے اور اسے ایک ایسے ویکسین میں بھی تبدیل کرنے کی ضرورت ہے جو دنیا بھر میں ہر طرح کے نزلہ و زکام کے لیے موزوں ہو۔

ماہرین کا کہنا تھا کہ نئے دریافت کیے گئے طریقہ کار پر کام کرکے اسے مزید بہتر بنایا جائے گا۔

خیال رہے کہ اس وقت دنیا بھر میں نزلہ و زکام کے لیے عام معالج اینٹی بائیوٹک اور اینٹی وائرل دوائیاں دیتے ہیں۔

دنیا کے مختلف ممالک میں انفلوئنزا سے بچاؤ کے لیے مختلف قسم کی دوائیاں دستیاب ہیں اور ہر طرح کے موسمی یا وبائی نزلہ زکام کے لیے بھی الگ الگ دوائیاں موجود ہیں۔

تاہم ماہرین کا خیال ہے کہ دریافت کیے گئے نئے طریقہ کار سے صرف ایک ہی قسم کی دوائی سے انفلوئنزا سے شروع ہونے والے ہر طرح کے نزلہ و زکام کا علاج ممکن ہو سکے گا۔

کپتانی سے برطرفی کے باوجود سرفراز ’اے کیٹگری‘ میں برقرار

لاہور: کپتانی چھن جانے کے بعد مشکلات میں گھرے سرفراز احمد کے لیے اچھی خبر یہ ہےکہ عہدے سے الگ کیےجانے کے بعد سابق کپتان کے سینٹرل کنٹریکٹ کی اے کیٹگری برقرار رہے گی۔

پی سی بی  حکام کےمطابق سابق کپتان کی  سینٹرل کنٹریکٹ گیٹگری تبدیل نہیں کی جارہی، وہ  بابرا عظم اور یاسر شاہ  کے ساتھ اے کیٹگری میں ہی  شامل رہیں گے۔

سابق کپتان ٹیسٹ، ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی فارمیٹ کی کرکٹ میں حصہ لے رہے ہیں اور وہ قومی ٹیم کے لیے انتخاب کے لیے بھی دستیاب ہیں، اس لیے ان کی کیٹگری میں تبدیلی کا معاملہ زیر بحث نہیں۔

ریڈ بال کرکٹ فارمیٹ سے  ریسٹ لینے والے وہاب ریاض بی کیٹگری کا حصہ ہیں، جبکہ ٹیسٹ کرکٹ کو خیرباد کہنےکا باقاعدہ اعلان کرنے والے فاسٹ بولر محمد عامر کو سی کیٹگری دی گئی ہے۔

عالمی بازار میں اضافے کے باوجود مقامی صرافہ مارکیٹوں میں سونے کی قیمت میں کمی

کراچی: عالمی مارکیٹ میں سونے کی فی اونس قیمت میں 2 ڈالر اضافہ جب کہ مقامی صرافہ مارکیٹوں میں فی تولہ سونے کی قیمت میں 100 روپے کی کمی ہوگئی۔

عالمی بلین مارکیٹ میں سونے کی فی اونس قیمت میں 2ڈالر کا اضافہ ہوا اور عالمی مارکیٹ میں سونے کی فی اونس قیمت 1491 ڈالر تک پہنچ گئی، تاہم اسکے برعکس مقامی صرافہ مارکیٹوں میں فی تولہ اور دس گرامی قیمت میں بالترتیب 100 روپے 85 روپے کی کمی ہوئی۔

قیمتوں میں کمی کے بعد کراچی، حیدرآباد، سکھر، ملتان، فیصل آباد، لاہور، اسلام آباد، راولپنڈی، پشاور اور کوئٹہ کی صرافہ مارکیٹوں میں فی تولہ سونے کی قیمت کم ہوکر 86 ہزار 900 روپے جب کہ دس گرام سونے کی قیمت گھٹ کر 74 ہزار 503 روپے ہوگئی۔ اس کے برعکس فی تولہ چاندی کی قیمت بغیر کسی تبدیلی کے 1040 روپے اور فی 10 گرام چاندی کی قیمت 891 روپے 63 پیسے پر مستحکم رہی۔

 

Google Analytics Alternative