Home » Author Archives: Admin (page 30)

Author Archives: Admin

ایوشمان کھرانہ ’ڈریم گرل‘ بننے کے لیے تیار

ممبئی: بھارتی اداکار ایوشمان کھرانہ نے ’خوابوں کی لڑکی‘ بننے کے لیے تیاری کرلی ہے جس کا پوسٹر بھی جاری کردیا گیا ہے۔

فلم ’وکی ڈونر‘ اور ’بدھائی ہو‘ سے شہرت پانے والے اداکار ایوشمان کھرانہ ان دنوں شائقین کی توجہ اپنی جانب مرکوز کیے ہوئے ہیں اور یکے کے بعد دیگر فلموں میں اداکاری کے جوہر دکھاتے نظر آرہے ہیں۔

اداکار نے ٹوئٹر پر اپنی آنے والی فلم کا پوسٹر جاری کردیا جس میں انہیں موٹر سائیکل  پر ساڑھی میں ملبوس بیٹھے دیکھا جاسکتا ہے جب کہ ساتھ ہی انہوں نے لکھا کہ جتنا ممکن ہو اتنا احمقانہ لیکن ڈریم گرل  کے طور پر یہ ہے میرے نئے انداز کی ایک جھلک۔

بالا جی موشن پکچر کے بینر تلے بننے والی فلم  ’ڈریم گرل‘ میں ایوشمانہ کھرانہ کے ہمراہ نشرت بھروچھا مرکزی کردار میں نظر آئیں گی۔

واضح رہے کہ ایوشمان کھرانہ کی رواں سال تقریباً 30 کروڑ کے بجٹ سے بننے والی فلم ’بدھائی ہو‘ اب تک دنیا بھر میں 200 کروڑ سے زائد کا بزنس کرنے والی کامیاب ترین فلم بن گئی ہے۔

سویا ہوا ضمیر

انسان دوست حلقوں کا کہنا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کا لامتناہی سلسلہ ایک عرصے سے جاری ہے اور اس میں کمی آنے کی بجائے مزید شدت آتی جا رہی ہے۔ بچوں اور حاملہ خواتین سمیت کئی کشمیری اس بھارتی بربریت کی بھینٹ چڑھ گئے۔ سبھی جانتے ہیں کہ سید علی گیلانی ، میر واعظ عمر فاروق ، یاسین ملک ، شبیر شاہ اور سبھی حریت قیادت ہر چند دنوں کے بعد گرفتار کر لی جاتی ہے اور ’’ بر ہان وانی ‘‘ کی شہادت بعد سے تو یہ سلسلہ تھمنے کا نام نہیں لے رہا بلکہ ہر آنے والے دن کے ساتھ تحریک آزادی کشمیر اک نئے مرحلے میں داخل ہوتی محسوس ہو رہی ہے ۔ یہ امر قابل ذکر ہے کہ کشمیریوں نے بھارت کی ہمیشہ ہمیشہ کیلئے نامنظوری پر ایک اور مہر ثبت کر دی ہے اور مقبوضہ کشمیر کے جعلی بلدیاتی انتخابات میں 95.73 فیصد کشمیریوں نے بائیکاٹ کر کے بھارت اور دنیا بھر کو روز روشن کی طرح واضح پیغام دے دیا ہے کہ وہ ہر قیمت پر آزادی حاصل کرنے کے خواہاں ہیں۔ یہ بات بھی دلچسپ ہے کہ یوں عالمی سطح پر کم سے کم ووٹ حاصل کرنے کا شرمناک ترین ریکارڈ بھی قائم ہو گیا ہے۔ کشمیریوں نے ان انتخابات کا ایسا بائیکاٹ کیا کہ امیدوار اپنے آپ کو خود ووٹ ڈالنے بھی نہیں آئے، ایک امیدوار تین ووٹ حاصل کر کے جیتا جبکہ بارہ مولا میں ایک امیدوار صرف ایک ووٹ حاصل کر کے جیتا، سری نگر کے ایک وارڈ میں کوئی امیدوار اپنے آپ کو بھی ووٹ ڈالنے نہ آیا جس کے بعد مقابلہ صفر، صفر، صفر سے برابر ہو گیا اور عالمی سطح پر کم سے کم ووٹ حاصل کرنے کا نیا ریکارڈ قائم ہو گیا۔ یاد رہے کہ بلدیاتی انتخابات کا ٹرن آؤٹ مقبوضہ وادی میں 1951 کے بعد اب تک کا کم ترین ریکارڈ ہے۔اس صورتحال کا جائزہ لیتے مبصرین نے کہا ہے کہ قابض بھارتی حکومت نے مقبوضہ کشمیر میں ظلم و زیادتی کا جو بازار گرم کر رکھا ہے اس سے بھلا کون آگاہ نہیں ۔ درندگی کی انتہا یہ کہ حالیہ مہینوں میں پیلٹ گنوں کے استعمال سے سینکڑوں نہتے کشمیریوں سے ان کی بینائی مکمل طور پر چھین لی گئی ۔ ایسی وحشت انگیز صورتحال کے اظہار کیلئے لفظ بھی ساتھ چھوڑ جاتے ہیں ۔ مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی افواج کی جانب سے گذشتہ 71 سالوں سے غیر انسانی مظالم کی انتہا ہو چکی ہے مگر اسے عالمی برادری کی بے حسی ہی کہا جا سکتا ہے کہ اس جانب عالمی برادری نے ہنوذ خاطر خواہ توجہ نہ دی اور اسی وجہ سے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم میں ہر آنے والے دن کے ساتھ مسلسل اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔ واضح رہے کہ دوسری جانب قابض دہلی سرکار نے مقبوضہ وادی کے زیادہ تر حصے میں کرفیو نافذ کردیا ہے جبکہ انٹرنیٹ ، فون سروس بھی معطل ہے اور تعلیمی ، تجارتی سرگرمیاں ٹھپ ہیں ۔ماہرین کے مطابق مقبوضہ ریاست میں بھارتی قابض فوج کے ہاتھوں نہتے کشمیریوں کی ہلاکتیں کچھ عرصے سے ایک معمول سا بنتی جا رہی ہیں۔مظاہرہ کر رہے افراد پر بھارتی فوجیوں کی گولیوں کی بوچھاڑ روز مرہ کا معمول بن چکی ہے۔ سبھی جانتے ہیں کہ اس سلسلے میں شدت جولائی 2016 میں مقبوضہ وادی میں حریت رہنما برہان وانی کی شہادت کے بعد آئی تھی، اس دن کے بعد سے آج تک صورتحال کسی بھی وقت دہلی سرکار کے قابو میں نظر نہیں آئی۔ ہر دن کشمیری آزادی کی راہ میں اپنی جان جانِ آفرین کے سپرد کر رہے ہیں۔ بھارتی صحافی رام شرن تیاگی نے ایک بھارتی ٹی وی چینل کھوج خبر پر اظہار خیال کرتے کہا کہ دہلی سرکار دعویٰ تو کرتی ہے کہ وہ کشمیری نوجوانوں کے مستقبل کے لیے فکر مند ہے مگر دوسری طرف کشمیر (مقبوضہ) میں نسل کشی جاری ہے۔ حالانکہ اگر دو حریت پسند شہید ہوتے ہیں تو 10 نوجوان دہلی کی روش کے خلاف بندوق تھامنے کیلئے تیار ہوتے ہیں۔ یہ انتہائی خطرناک صورتحال ہے جسے حکومت ہند اپنی بیوقوفی سے مسلسل نظرانداز کر رہی ہے۔ سنجیدہ حلقوں کا کہنا ہے کہ بھارت میں زعفرانی دہشتگردی روز افزوں بڑھ رہی ہے۔ انتہا پسند ہندو رہنما اور مودی کے وزیر مملکت گری راج سنگھ کا کہنا تھا کہ ’’مسلمان مغلوں کے نہیں بلکہ رام کے جانشین ہیں، اس لیے انہیں بھی رام مندر کی حمایت کرنی چاہیے۔ اگر وہ رام مندر کی حمایت نہیں کریں گے تو انہیں معلوم ہونا چاہیے کہ ان کا حشر کیا ہو گا۔ مسلمان ان نتائج کا تصور بھی نہیں کر سکتے ۔‘‘ یاد رہے کہ وزیر موصوف بابری مسجد کی جگہ پر رام مند ر کی تعمیر کی ضرورت پر خطاب کر رہے تھے۔ اس نے مزید کہا کہ ’’اس وقت رام مندر کا معاملہ دوسرے مرحلے میں پہنچ جانے والے کینسر کی طرح بن چکا ہے۔اگر اس کا علاج ابھی نہیں کیا گیا تو پھر یہ مستقبل میں لاعلاج ہوجائے گا اس لئے ہندوؤں کو اس ضمن میں ہر حد تک جانا چاہیے۔‘ ۔ ایسے میں امید کی جانی چاہیے کہ عالمی برادری کے ایک ’’بڑے حلقے‘‘ کا سویا ہوا ضمیر کشمیر میں جاری ریاستی دہشتگردی کیلئے اپنی اخلاقی اور انسانی ذمہ داریاں پوری کرنے کے حوالے سے فعال کردار ادا کرے گا۔

پاکستان کی عمدہ باؤلنگ، نیوزی لینڈ 229رنز پر 7وکٹوں سے محروم

ابوظہبی: پاکستان نے باؤلرز کی شاندار کارکردگی کی بدولت نیوزی لینڈ کے خلاف تیسرے ٹیسٹ میچ میں اپنی پوزیشن مستحکم کر لی ہے اور میچ کے پہلےدن نیوزی لینڈ کو 229 رنز 7وکٹوں سے محروم کردیا ہے۔۔

شیخ زید اسٹیڈیم میں جاری اس میچ میں ٹاس جیتنے کے بعد نیوزی لینڈ کے کپتان کین ولیمسن نے ٹاس جیت کر بیٹنگ کا فیصلہ کیا۔

پاکستانی باؤلر خصوصاً یاسر شاہ نے ایک مرتبہ پھر عمدہ باؤلنگ کرتے ہوئے اننگز کی ابتدا سے ہی نیوزی لینڈ کو دباؤ میں رکھا اور کھل کر کھیلنے موقع نہ دیا۔

کیریئر کا پہلا ٹیسٹ میچ کھیل کر ڈیبیو کرنے والے شاہین آفریدی نے 24 کے مجموعے پر ٹام لیتھ کو ایل بی ڈبلیو آؤٹ کر کے پاکستان کو پہلی کامیابی دلائی۔

نیوزی لینڈ کا اسکور 70 رنز پر پہنچا تو کھانے کے وقفے سے یاسر شاہ نے شاندار اسپیل کرتے ہوئے یکے بعد دیگرے تین وکٹیں حاصل کر کے مہمان ٹیم کو مشکلات سے دوچار کردیا۔

یاسر نے جیت روال کو 45 رنز بنانے کے بعد ایل بی ڈبلیو آؤٹ کردیا، جبکہ اگلی ہی گیند پر روس ٹیلر کو بھی چلتا کیا۔

یاسر شاہ نے 72 کے مجموعی اسکور پر ہینری نکولس کو بولڈ کیا تو نیوزی لینڈ کی ٹیم 4 وکٹوں سے محروم ہو چکی تھی جس کے بعد کپتان کین ولیمسن اور بی جے واٹلنگ نے کریز سنبھالی۔

نیوزی لینڈ کے بلے باز روس ٹیلر کے باؤلڈ ہونے کے بعد وکٹ کی جانب دیکھ رہے ہیں— فوٹو: اے ایف پی
نیوزی لینڈ کے بلے باز روس ٹیلر کے باؤلڈ ہونے کے بعد وکٹ کی جانب دیکھ رہے ہیں— فوٹو: اے ایف پی

دونوں بلے بازوں نے عمدہ کھیل پیش کرتے ہوئے 104رنز کی شراکت قائم کر کے نیوزی لینڈ کو مکممل تباہی سے بچا لیا۔

اس شراکت کے قیام میں پاکستانی فیلڈر نے بھی عمدہ کھیل پیش کیا جنہوں نے 9 کے انفرادی اسکور پر بی جے واٹلنگ کا کیچ کیچ چھوڑ کر نیوزی لینڈ کم اسکور پر آؤٹ کرنے کا نادر موقع گنوا دیا۔

اس شراکت کا خاتمہ اس وقت ہوا جب 176 کے اسکور پر کیوی کپتان 89 رنز کی شاندار اننگز کھیلنے کے بعد حسن علی کی ریورس سوئنگ کا شکار بنے۔

اس کے بعد کولن ڈی گرینڈ ہوم کی وکٹ پر آمد ہوئی جنہوں نے واٹلنگ کے ساتھ مل کر ٹیم کی ڈصبل سنچری مکمل کرائی لیکن بلال آصف نے آل راؤنڈر کی اننگز کا خاتمہ کردیا۔

پاکستان کو 7ویں کامیابی کے لیے بھی زیادہ انتظار نہ کرنا پڑا اور بلال نے ایک اور کامیابی حاصل کرتے ہوئے ٹم ساؤدھی کو پویلین واپسی پر مجبور کردیا۔

جب میچ کے پہلے دن کا کھیل ختم ہوا تو نیوزی لینڈ نے 7 وکٹوں کے نقصان پر 229رنز بنائے تھے، واٹلنگ 42 اور ولیم سومر ویل 12رنز پر کھیل رہے ہیں۔

ٹاس

ادھر پاکستانی کپتان سرفراز احمد پر میچ اور سیریز جیتنے کے لیے پُر عزم دکھائی دے رہے ہیں اور ان کا کہنا تھا کہ ان کے باؤلر اچھی فارم میں ہے اور وہ کیوی ٹیم پر دباؤ بڑھانے کی کوشش کریں گے۔

پاکستان کی جانب سے شاہین آفریدی ڈیبیو کر رہے ہیں جبکہ نیوزی لینڈ کی جانب سے ول سمرویلے ڈیبیو کر رہے ہیں۔

سرفراز احمد کی قیادت میں امام الحق، محمد حفیظ، اظہر علی، حارث سہیل، اسد شفیق، بابر اعظم، سرفراز احمد، بلال آصف، یاسر شاہ اور حسن علی پر مشتمل ٹیم ابوظہبی کے میدان میں اتر گئی۔

نیوزی لینڈ کی ٹیم کی قیادت کین ولیمسن کر رہے ہیں جبکہ جیت راول، ٹام لیتھم، روس ٹیلر، ہینری نکلس، بی جے واٹلنگ، کولن ڈی گرینڈ ہوم، ول سمرویلے، ٹم ساؤتھی اعجاز پٹیل اور ٹرینٹ بولٹ ٹیم کا حصہ ہیں۔

خیال رہے کہ سیریز کے پہلے میچ میں نیوزی لینڈ نے سنسنی خیز مقابلے کے بعد اعجاز پٹیل کی شاندار باؤلنگ کے نتیجے میں پاکستان کو 4 رنز سے شکست سے دوچار کیا تھا۔

دوسرے ٹیسٹ میچ میں پاکستان کے یاسر شاہ کیوی بلے بازوں پر قہر بن کر برسے اور میچ میں 14 وکٹیں لے کر پاکستان کو اننگز اور 16 رنز سے کامیابی دلوا کر سیریز ایک ایک سے برابر کردی تھی۔

پیٹ پھولنے کے مسئلے سے نجات دلانے والے مشروبات

بہت زیادہ یا بہت تیزی سے کھانے کے نتیجے میں پیٹ پھول جاتا ہے یا یوں کہہ لیں اندر سے سوج جاتا ہے جس کے نتیجے میں کافی تکلیف کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

ویسے یہ جان لیں کہ ہر وقت پیٹ سپاٹ رکھنا نارمل نہیں ہوتا کیونکہ کھانے یا پینے کے بعد غذائیں اور سیال مواد معدے اور آنتوں میں جگہ بنا لیتے ہیں، یعنی وہ کچھ پھول جاتے ہیں۔

ویسے تو پیٹ کا بہت زیادہ پھولنا ضروری نہیں، اس بات کی علامت ہو کہ آپ نے کچھ غلط کھالیا ہے تاہم یہ اتنا پھول جائے کہ کپڑے تنگ محسوس ہونے لگیں تو اس کی وجہ آپ کی غذا ہی ہوسکتی ہے۔

تاہم کچھ مشروبات اس حوالے سے فائدہ مند ہوتے ہیں جن کے بارے میں جاننا آپ کے لیے فائدہ مند ثابت ہوسکتے ہیں۔

پودینے کی چائے

اگر رات کو کھانے کے بعد پیٹ میں گرانی کا احساس ہو تو پودینے کی چائے کا ایک کپ اس احساس سے نجات دلانے میں مددگار ثابت ہوسکتا ہے، اس چائے کو پینے سے غذائی نالی کے مسلز کو سکون ملتا ہے جبکہ ہاضمہ بھی بہتر ہوتا ہے۔

ناریل کا پانی

سافٹ ڈرنکس اور دیگر میٹھے مشروبات کی جگہ ناریل کے پانی کا استعمال موٹاپے سے بچاﺅ کے لیے فائدہ مند ہے، درحقیقت یہ صرف 14 دن میں توند میں نمایاں کمی لانے میں مدد دیتا ہے، یہ کم کیلوریز مشروب پیٹ کو دیر تک بھرے رکھنے کا احساس دیتا ہے، کھانے سے قبل ایک گلاس اس مشروب کا استعمال آپ کو زیادہ کھانے نہیں دے گا، اس میں موجود پوٹاشیم پیٹ پھولنے کا مسئلہ بھی کم کرتا ہے۔

پانی

اگر پیٹ پھول جائے تو ہوسکتا ہے کہ آپ کو لگے کہ اب پیٹ میں کسی چیز کی گنجائش نہیں، مگر پانی پینا نظام کی صفائی، گیس کے اخراج اور پیٹ سپاٹ کرنے میں مدد دے سکتا ہے، درحقیقت اگر مناسب مقدار میں پانی نہ پیا جائے تو جسم ڈی ہائیڈریشن سے بچنے کے لیے پانی کو جمع کرلیتا ہے جو پیٹ پھولنے کا باعث بنتا ہے۔

لیموں پانی

لیموں ترش ہوتے ہیں جو نظام ہاضمہ کو بہتر اور گیس کو کم کرتے ہیں، اس میں پوٹاشیم بھی موجود ہوتا ہے جو جسم میں نمک کی سطح کو کنٹرول میں رکھتا ہے، ایک تجربے کے دوران ایک خاتون نے 2 ہفتے تک لیموں پانی پیا اور کچھ دن بعد ہی انہیں یہ احساس ہوا کہ ان کے پیٹ پھولنے یا گیس پیدا ہونے کا مسئلہ کم ہوگیا ہے۔

سبز چائے

سبز چائے نظام ہاضمہ کو صاف کرنے، میٹابولزم کو بہتر بنانے اور پیٹ پھولنے کو کم کرتی ہے جبکہ سبز چائے ایک ایسا مشروب ہے جس کا زیادہ استعمال کسی قسم کے مضر اثرات کا باعث بھی نہیں بنتا، اگر اکثر پیٹ پھولنے اور گیس کا مسئلہ ہوتا ہے تو اس گرم مشروب سے لطف اندوز ہونا مت بھولیں۔

ادرک کی چائے

ادرک موسمی نزلہ زکام، مسلز میں تکلیف وغیرہ کے لیے گھریلو ٹوٹکے کے طور پر استعمال کی جاتی ہے اور پیٹ پھولنے کی تکلیف میں کمی کے لیے بھی فائدہ مند ہے، یہ قدرتی طور پر ورم کش اور نظام ہاضمہ کے لیے بہترین ہے۔ یہ نظام ہاضمہ کو سکون پہنچا کر غذائی نالی کے مسلز کو ریلیکس کرتی ہے۔ اس میں موجود انزائمے پروٹین کو جذب کرنے میں مدد دیتے ہیں، جس سے بھی پروٹین کے زیادہ استعمال سے پیٹ پھولنے اور گیس کا مسئلہ کم ہوتا ہے، اس کی چائے بناکر استعمال کرنا اس حوالے سے فائدہ مند ہوتا ہے۔

سونف کی چائے

ایک تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ سونف پیٹ پھولنے کے مسئلے سے نجات دلانے کے لیے بہترین ٹوٹکا ہے جو گیس کم کرنے والے آئلز سے بھرپور ہوتی ہے، اگر پیٹ پھولنے کا مسئلہ ہو تو ایک کپ گرم پانی میں سونف کا اضافہ کرکے اسے 10 منٹ بعد پی لیں۔

نوٹ: یہ مضمون عام معلومات کے لیے ہے۔ قارئین اس حوالے سے اپنے معالج سے بھی ضرور مشورہ لیں۔

’ٹو پوائنٹ زیرو‘ کی 4 دن کی کمائی 400 کروڑ

بھارت کی اب تک کی سب سے مہنگی فلم ’ٹوا پوائنٹ زیرو‘ کو گزشتہ ماہ 29 نومبر کو بھارت سمیت دنیا بھر میں ہندی سمیت دیگر زبانوں میں ریلیز کیا گیا تھا۔

یہ خیال پہلے ہی کیا جا رہا تھا کہ رجنی کانت اور اکشے کمار کی یہ فلم کئی ریکارڈ توڑ کر نئے ریکارڈ بنانے میں کامیاب جائے گی، تاہم ریلیز کے پہلے دن ایسا ہوتے نظر نہیں آیا۔

اگرچہ ’ٹوا پوائنٹ زیرو‘ نے ریلیز کے پہلے ہی دن مجموعی طور پر 100 کروڑ روپے سے زائد کی کمائی کی تھی، تاہم فلم کے ہندی ورژن نے انتہائی کم کمائی کرتے ہوئے محض 20 کروڑ روپے بٹورے تھے۔

تاہم ’ٹوا پوائنٹ زیرو‘ کے تامل اور تیلگو ورژنز نے پہلے ہی دن ریکارڈ توڑ کمائی کی اور فلم نے مجموعی طور پر پہلے ہی دن 100 کروڑ روپے کما کر سب کو حیران کردیا۔

اسی طرح 550 کروڑ روپے کی لاگت سے تیار ہونے والی فلم ’ٹوا پوائنٹ زیرو‘ نے محض ریلیز کے 4 دن کے اندر ہی 400 کروڑ روپے کماکر اب تک کی رواں برس کی سب سے زیادہ پیسے کمانے والی بھارتی فلم کا اعزاز اپنے نام کرلیا۔

فلم کو 29 نومبر کو ریلیز کیا گیا تھا—اسکرین شاٹ
فلم کو 29 نومبر کو ریلیز کیا گیا تھا—اسکرین شاٹ

فلم کو ریلیز کرنے والے پروڈکشن ہاؤس لوشیا نے اپنی ٹوئیٹ میں دعویٰ کیا کہ فلم نے دنیا بھر سے 400 کروڑ روپے سے زائد کی کمائی کرکے بلاک بسٹر فلم کا اعزاز اپنے نام کرلیا۔

ٹوئیٹ میں دعویٰ کیا گیا کہ ریلیز کے ابتدائی 4 دن کے اندر 400 کروڑ کمانے کے بعد یہ فلم نے صرف بلاک بسٹر بلکہ میگا بلاک بسٹر بھی بن گئی۔

بولی وڈ تجزیہ نگار ترن آدرش نے بھی اپنی ٹوئیٹ میں بتایا کہ ’ٹوا پوائنٹ زیرو‘ کے ہندی ورژن نے ریلیز کے ابتدائی 4 دن کے اندر 97 کروڑ روپے کمالیے۔

یوں ’ٹوا پوائنٹ زیرو‘ ابتدائی 4 دن میں 100 کروڑ کلب میں شامل ہونے والی رواں برس کی 12 ویں ہندی فلم بھی بن گئی۔

علاوہ ازیں فلم ساز کرن جوہر نے بھی اپنی ٹوئیٹ میں بتایا کہ دھرما پروڈکشن کے تعاون سے ریلیز ہونے والے ’ٹوا پوائنٹ زیرو‘ کے ہندی ورژن نے 4 دن میں 100 کروڑ روپے کمالیے۔

فلم میں ایمی جیکسن بھی شاندار اداکاری کرتی دکھائی دیں—اسکرین شاٹ
فلم میں ایمی جیکسن بھی شاندار اداکاری کرتی دکھائی دیں—اسکرین شاٹ

’ٹوا پوائنٹ زیرو‘ نے جہاں باکس آفیس کے ذریعے 4 دن میں 400 کروڑ روپے بٹورے ہیں، وہیں اس فلم نے ٹی وی اور ڈیجیٹل رائیٹس کے ذریعے بھی ریلیز سے پہلے ہی 370 کروڑ روپے کمالیے تھے۔

یعنی فلم نے اب تک مجموعی طور پر 750 کروڑ روپے کمالیے ہیں، جو فلم کے بجٹ سے 200 کروڑ روپے زائد ہیں۔

فلم میں اکشے کمار ولن کے روپ میں نظر آئے—اسکرین شاٹ
فلم میں اکشے کمار ولن کے روپ میں نظر آئے—اسکرین شاٹ

یہ فلم بھارت کی 2010 میں ریلیز ہونے والی فلم ‘اینتھریان‘ یعنی ‘روبوٹ‘ کا سیکوئل ہے، جس میں رجنی کانت ہی ڈبل کرداروں میں نظر آئے تھے۔

’پوائنٹ ٹو زیرو‘ کی ہدایات تامل فلموں کے معروف ڈائریکٹر شنکر نے دی ہیں اور اس میں اکشے کمار اور رجنی کانت کے علاوہ ایمی جیکسن سمیت کئی اداکار ایکشن میں دکھائی دیے۔

اس فلم کے صرف ایک گانے کی شوٹنگ پر 20 کروڑ روپے خرچ کیے گئے، جب کہ فلم میں اکشے کمار اور رجنی کانت کی لڑائی کے چند مناظر پر بھی 20 کروڑ روپے کا خرچ کیا گیا تھا۔

افغان طالبان کے سینیئر کمانڈر ملا عبدالمنان امریکی فضائی حملے میں ہلاک

کابل: افغانستان میں امریکی فضائی حملے کے نتیجے میں طالبان کے سینیئر کمانڈر ملا عبدالمنان اخوند ہلاک ہو گئے ہیں۔

غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق ہفتے اور اتوار کی درمیانی رات افغان صوبے ہلمند کے ضلع نوزاد میں امریکی طیاروں نے افغان طالبان کے مشتبہ ٹھکانے پر حملہ کیا۔ جس میں 29  طالبان ہلاک اور کئی زخمی ہوئے۔ ہلاک ہونے والوں میں طالبان کی جانب سے ہلمند کے لئے مقرر کئے گئے گورنر اور عسکری سربراہ ملا عبدالمنان اخوند بھی شامل ہیں۔

افغان طالبان نے ملا منان کی موت کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ افغانستان سے غیر ملکی افواج کے انخلا تک اپنی جدو جہد جاری رکھیں گے۔

دوسری جانب افغان وزارتِ خارجہ کے ترجمان نجیب دانش نے کہا ہے کہ ملا منان کی موت طالبان کے لیے بہت بڑا دھچکہ ہے۔

واضح رہے کہ صوبہ ہلمند کو افغان طالبان کے سب سے بڑے گڑھ کے طور پر جانا جاتا ہے۔ 2014 میں برطانوی فوج کے انخلا کے بعد سے صوبے کے بیشتر حصے پر افغان طالبان کا تسلط ہے۔

آئی سی سی ٹیسٹ رینکنگ میں یاسر شاہ کی ترقی

دبئی: انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کی نئی ٹیسٹ رینکنگ میں یاسر شاہ مزید ایک درجہ ترقی کرتے ہوئے نویں پوزیشن پر آگئے ہیں۔ 

آئی سی سی کی ویب سائٹ پر جاری کردہ اعداد وشمار کے مطابق قومی کرکٹ ٹیم کے لیگ اسپنر یاسر شاہ نیوزی لینڈ کے خلاف دبئی ٹیسٹ میں 14 وکٹیں حاصل کرنے کے بعد ٹاپ 10 میں جگہ بنانے میں کامیاب ہوئے تھے، اب تیسرے ٹیسٹ کے پہلے روز ہی شاندار کارکردگی سے ایک درجہ مزید چھلانک لگاتے ہوئے نویں پوزیشن پر آگئے ہیں۔

ٹیسٹ بولرز کی رینکنگ میں جنوبی افریقا کے کگیسو ربادا پہلے نمبر پر موجود ہیں جب کہ انگلینڈ کے جیمز اینڈرسن دوسرے اور پاکستان کے محمد عباس تیسری پوزیشن پر براجمان ہیں۔

عمران خان کو سلیکٹ کرنے والوں کو اپنی غلطی کا جلد احساس ہوگا، خورشید شاہ

اسلام آباد: پیپلزپارٹی کے رہنما خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ عمران خان کو سلیکٹ کرنے والوں کو جلد احساس ہو جائے گا کتنی بڑی غلطی کر بیٹھے۔

گورنر ہاؤس کی دیوار گرانے پر پیپلزپارٹی کے رہنما خورشید شاہ نے سخت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ عمران خان حکومت کی سونامی سے ہر طرف تباہی آ رہی ہے، پہلے معیشت تباہ کی، اب قومی ورثے تباہ کر رہے ہیں، کیا بچگانہ سوچ ہے کہ دیوار گرا کر جنگلے لگائیں گے، سوچے سمجھے بغیر کیے جانے والے حکومتی فیصلوں سے خوف آ رہا ہے۔

خورشید شاہ نے کہا کہ تاریخی عمارتیں گرائی نہیں، محفوظ کی جاتی ہیں، اپنے کہے پر عمل کرنا ہوتا تو 100 دنوں میں وزیراعظم ہاؤس میں تعلیمی ادارہ ہوتا، یہ اپنے اعلانات کا مان رکھتے، وزیراعظم ہاؤس اور گورنر ہاؤس میں رہائش ہی نہ رکھتے۔ انہوں نے کہا کہ دیواریں گرانے جیسے نمائشی اقدامات محض سستی شہرت ہیں، عمران خان کو احساس ہی نہیں کہ حکمرانی کتنی بڑی ذمہ داری ہے تاہم سلیکٹ کرنے والوں کو جلد احساس ہو جائے گا کتنی بڑی غلطی کر بیٹھے، عمران خان گرتی معیشت کو سنبھالیں، ورنہ ان کی حکومت نہیں سنبھلے گی۔

رہنما پیپلزپارٹی خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ ملکی معیشت کے بعد اب قومی ورثے کو بھی تباہ کرنے کا آغاز کردیا گیا، گورنر ہاؤس لاہور کی دیواریں منہدم کرکے قومی ورثے کی تباہی کا آغاز کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت دنیا کی واحد حکومت ہے جو عالمی روایات کے برعکس عمل کررہی ہے، گورنر ہاؤس کی دیواریں گراکر عوام کی حمایت حاصل کرنے کی ناکام کوشش کی جارہی ہے۔

Google Analytics Alternative