Home » Author Archives: Admin (page 30)

Author Archives: Admin

محمد عامر ٹی ٹوئنٹی بلاسٹ لیگ میں شرکت کیلیے تیار

ورلڈکپ میں عمدہ کارکردگی دکھانے والے پاکستانی پیسر محمد عامر انگلش ٹی ٹوئنٹی بلاسٹ لیگ میں شرکت کی تیاری کرنے لگے ہیں۔

میگا ایونٹ کے سیمی فائنل سے باہر ہونے کے بعد دیگر کھلاڑیوں کے ہمراہ پاکستان واپس آنے کے بجائے انگلینڈ میں ہی قیام کرنے والے قومی ٹیم کے بولر ایسیکس کی نمائندگی کریں گے، انہوں نے گزشتہ روز اپنی کاؤنٹی ٹیم کیلیے فوٹو شوٹ بھی کروایا۔

واضح رہے ٹی ٹوئنٹی بلاسٹ لیگ کا آغاز 18 جولائی کو ہو رہا ہے، ایونٹ کا فائنل 21 ستمبر کو برمنگھم کے ایجبسٹن گراؤنڈ میں کھیلا جائے گا، وورسٹرشائر ریپیڈز دفاعی چیمپئن ہے۔

جوہری ایجنسی کے اجلاس میں روس اور ایران کی امریکا پر کڑی تنقید

ویانا: روس اور ایران نے جوہری توانائی ایجنسی کے اجلاس میں امریکا کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

امریکی درخواست پر بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی (آئی اے ای اے) کا آسٹریا کے دارالحکومت ویانا میں خصوصی اجلاس ہوا جس میں مسئلہ ایران پر غور کیا گیا۔

ایرانی سفیر کاظم غریب آبادی نے اجلاس میں کہا کہ امریکا کی جانب سے ایران کو معاشی دہشتگردی کا سامنا ہے، امریکا غیر قانونی اور یکطرفہ پابندیوں کو خود مختار ریاستوں کیخلاف دباؤ کیلیے آلہ بنارہا ہے، لیکن یہ سلسلہ اب ختم ہوجانا چاہیے، جوہری معاہدے سے متعلق ایرانی اقدامات امریکی غیر قانونی رویے کا نتیجہ ہیں۔

روسی سفیر میخائل اولیانوف نے بھی واشنگٹن پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ امریکا جوہری معاہدے کے معاملے پر عملاً تنہا ہوگیا ہے، اس کی جانب سے جوہری ادارے کا اجلاس بلانا عجیب ہے، کیونکہ ٹرمپ نے جوہری معاہدے کو بدترین قرار دیا تھا، اجلاس بلانے کی درخواست سے ظاہر ہوتا ہے کہ وہ جوہری معاہدے کی اہمیت سے آگاہ ہے۔

امریکی سفیر جوکی وال کوٹ نے کہا کہ ایران نیوکلیئر بھتہ خوری میں مصروف ہے اور جوہری معاہدے کی خلاف ورزی کی دھمکی دے کر بین الاقوامی برادری سے پیسہ بٹورنے کی کوشش کررہا ہے۔ ادھر برطانیہ، فرانس، جرمنی نے جوہری ڈیل بچانے کیلیے سفارتی کوششیں جاری رکھنے کا مشترکہ بیان دیا۔

واضح رہے کہ چند روز قبل ہی ایران نے 2015 کے جوہری معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے افزودہ یورینیم کی مقدار بڑھانے کا اعلان کیا ہے۔

شردھا کپور دلہن بننے کو تیار؟

 سال 2017 اور 2018 بولی وڈ میں شادیوں کا سال رہا اور گزشتہ 2 سال میں انوشکا شرما، دپیکا پڈوکون، پریانکا چوپڑا اور نیہا دھوپیہ جیسی ٹاپ اداکاراؤں نے شادی کی۔

اگرچہ اطلاعات ہیں کہ عالیہ بھٹ، ورون دھون، رنبیر کپور، سشمیتا سین، ملائکا اروڑا اور ارجن کپور بھی جلد شادی کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں، تاہم تاحال کسی کی جانب سے شادی کرنے کی تصدیق نہیں کی گئی۔

اور اب خبر سامنے آئی ہے کہ دیگر بولی وڈ شخصیات کی طرح بولی وڈ ولن شکتی کپور کی شرمیلی بیٹی شردھا کپور بھی دلہن بننے کو تیار ہیں۔

جی ہاں، اطلاعات ہیں کہ شردھا کپور آئندہ سال تک شادی کے بندھن میں بندھ جائیں گی۔

اداکارہ نے خود شادی کے حوالے سے وضاحت نہیں کی—فوٹو: ڈی این اے انڈیا
اداکارہ نے خود شادی کے حوالے سے وضاحت نہیں کی—فوٹو: ڈی این اے انڈیا

نیوز 18 نے اپنی خبر میں ایک اور نشریاتی ادارے کی خبر کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ شردھا کپور آئندہ سال اپنے دیرینہ دوست فوٹوگرافر روہن شریستھا سے شادی کے بندھن میں بندھ جائیں گی۔

رپورٹس کے مطابق دونوں کے درمیان گزشتہ 2 سال سےتعلقات ہیں اور دونوں کو متعدد بار ایک ساتھ دیکھا گیا۔

رپورٹ میں ذرائع سے بتایا گیا کہ دونوں نے اپنے تعلقات کو رشتے میں بدلنے کا فیصلہ کرلیا ہے اور جلد ہی دونوں اس حوالے سے اعلان بھی کریں گے۔

ماضی میں فرحان اور شردھا کو متعدد بار ایک ساتھ دیکھا گیا—فوٹو: انڈیا ٹوڈے
ماضی میں فرحان اور شردھا کو متعدد بار ایک ساتھ دیکھا گیا—فوٹو: انڈیا ٹوڈے

ساتھ ہی رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا کہ شردھا کپور کی جانب سے دلہن بننے کی رضامندی پر ان کی والدہ بھی خوش ہیں اور انہوں نے بیٹی کی شادی کی تیاریاں بھی شروع کردیں۔

رپورٹس میں بتایا گیا کہ شردھا کپور کی والدہ نے بیٹی کے جہیز کی خریداری شروع کردی۔

ساتھ ہی رپورٹ میں بتایا گیا کہ اگرچہ دونوں کی آئندہ برس تک شادی کے امکانات ہیں، تاہم دونوں نے تاحال اس حوالے سے کچھ بھی نہیں کہا۔

فرحان اختر سے اختلافات کے بعد شردھا نے روہن شریستھا کے ساتھ تعلقات استوار کیے—فوٹو: تائمز آف انڈیا
فرحان اختر سے اختلافات کے بعد شردھا نے روہن شریستھا کے ساتھ تعلقات استوار کیے—فوٹو: تائمز آف انڈیا

خیال رہے کہ فوٹو گرافر روہن شریستھا سے تعلقات سے قبل شردھا کپور کےتعلقات اداکار فرحان اختر سے تھے اور بھارتی میڈیا میں رپورٹس تھیں کہ دونوں شادی بھی کریں گے۔

تاہم بعد ازاں دونوں میں اختلافات ہوگئے، جس کے بعد شردھا کپور نے فوٹوگرافر روہن شریستھا اور فرحان اختر نے ماڈل شبانی ڈنڈیکر سے تعلقات استوار کرلیے۔

جہاں شردھا کپور کی شادی کی چہ مگوئیاں ہیں، وہیں بھارتی میڈیا میں آئندہ برس تک فرحان اختر کی بھی شبانی ڈنڈیکر سے شادی کی چہ مگوئیاں ہیں، تاہم اس حوالے سے فرحان اختر نے بھی تاحال کوئی بیان نہیں دیا۔

شردھا کپور جلد ہی نئی فلم اے بی سی ڈی تھری میں نظر آئیں گی—فوٹو: انسٹاگرام
شردھا کپور جلد ہی نئی فلم اے بی سی ڈی تھری میں نظر آئیں گی—فوٹو: انسٹاگرام

دور دراز ایسٹیرائیڈ پر جاپانی خلائی جہاز کی کامیاب لینڈنگ اور ڈرلنگ

ٹوکیو: جاپانی خلائی ایجنسی ’’جاکسا‘‘ کا تیار کردہ خودکار خلائی جہاز ’’ہایابوسا2‘‘ اپنے ساڑھے چار سالہ سفر کے بعد ’’162173 ریوگو‘‘ (Ryugu) کہلانے والے شہابیے پر کامیابی سے اتر گیا ہے۔ اگرچہ اس سے پہلے بھی چند شہابیوں تک خودکار خلائی جہاز پہنچ چکے ہیں لیکن ہایابوسا2 اس لحاظ سے منفرد ہے کہ اس نے ’’ریوگو‘‘ پر اتر کر وہاں کی کھدائی (ڈرلنگ) کی ہے اور شہابیے کی سطح کے اندر سے مٹی کے نمونے جمع کیے ہیں۔

اس طرح یہ انسانی تاریخ میں وہ پہلا موقعہ ہے کہ جب زمین سے بھیجی گئی کسی خودکار مشین نے دوسرے شہابیے پر کھدائی (ڈرلنگ) کا عمل انجام دیا ہے اور نمونے جمع کیے ہیں۔ اس سے پہلے یہ کامیابی صرف مریخ کے ضمن ہی میں حاصل کی جاسکی تھی۔

واضح رہے کہ ریوگو شابیے (ایسٹیرائیڈ) کا مدار زمین اور مریخ کے درمیان واقع ہے۔ اس شہابیے پر اترنے کےلیے جاپانی خلائی ایجنسی ’’جاکسا‘‘ نے ہایابوسا2 مشن کو دسمبر 2014 میں روانہ کیا تھا۔ یہ گزشتہ برس کے اختتام تک ریوگو تک پہنچ چکا تھا اور اسی کے ساتھ ساتھ مدار میں گردش کررہا تھا۔ ہایابوسا2 لینڈر کو پہلی بار فروری 2019 میں آزمائشی طور پر تھوڑی سی دیر کےلیے ریوگو پر اتارا گیا اور یہ سطح سے کچھ نمونے جمع کرنے کے فوراً بعد اپنے مدار میں واپس پہنچا دیا گیا۔

ہایابوسا2 کی لینڈنگ کے بعد بھیجی گئی اوّلین تصاویر: نچلی تصویر میں ریوگو کی سطح دکھائی دے رہی ہے جبکہ اوپر والی تصویر میں ہایابوسا2 لینڈر کا نچلا حصہ بھی دیکھا جاسکتا ہے۔


 

ہایابوسا2 کی دوسری اور اصل لینڈنگ آج یعنی 11 جولائی 2019 کے روز، جاپانی وقت کے مطابق صبح تقریباً دس بجے شروع ہوئی جو نہایت آہستگی اور احتیاط کے ساتھ تقریباً پچاس منٹ میں مکمل ہوئی۔ اپنی جگہ پر مستحکم ہونے کے بعد ہایابوسا2 لینڈر نے اپنے ڈرلنگ کے آلات کھول لیے ہیں اور ریوگو کے اندرونی حصوں سے نمونے جمع کرنے میں مصروف ہے۔ متوقع طور پر یہ کام کل یعنی 12 جولائی 2019 تک مکمل ہوجائے گا، جس کے بعد ہایابوسا2 ایک بار پھر وہاں سے بلند ہوگا اور اپنے سابقہ مقام پر واپس آجائے گا۔

منصوبے کے مطابق، یہ دسمبر 2019 میں ریوگو ایسٹیرائیڈ کو خیرباد کہے گا اور ایک سالہ سفر کے بعد دسمبر 2020 تک زمین پر واپس پہنچ جائے گا۔ ریوگو کے اندرون سے حاصل شدہ مٹی کے نمونوں کا تجزیہ کرکے ماہرین ہمارے نظامِ شمسی کی تاریخ، ارتقاء اور ساخت کے بارے میں اپنی معلومات اور نظریات کو بہتر بناسکیں گے۔

گوئل اور اروند سے بھارت کی توقعات

پاکستان اور بھارت نے دو آزاد ممالک کی حیثیت سے برطانیہ سے آزادی حاصل کی لیکن ایک ہی آقا سے آزادی حاصل کرنے کے باوجود ان دونوں کے تعلقات کبھی خوشگوار نہ رہ سکے اور اس کی سب سے بڑی وجہ ہندو لیڈرشپ کا اکھنڈ بھارت کا وہ خواب تھا جس کو اس نے آزادی کے بعد بھی نہیں توڑا اور اسی وجہ سے پاکستان کو کبھی دل سے تسلیم بھی نہیں کیا، حالانکہ کہنے کو تو مسلمان اور ہندو ہزار سال سے زائد عرصے سے برصغیر میں رہ رہے تھے لیکن دونوں مذاہب میں زمین آسمان کا فرق ہونے کی وجہ سے دونوں کبھی ایک رنگ میں نہ رنگ سکے ۔ ظاہری شکل و شباہت کے علاوہ کوئی چیز دونوں میں مشترک نہ تھی اور ایساپوری دنیا میں ہوتاہے کہ بنیادی طور پر مختلف نظریات کے حامل لوگ ایک الگ اکائی ہی بناتے ہیں اور ایسا ہی بر صغیر میں ہواکہ دو الگ الگ ریاستیں بنیں ہندو چونکہ اکثریت میں تھے لہٰذا ان کی ریاست بڑی تھی لیکن دوسری طرف بھی سب سے بڑی مسلمان ریاست تھی جسے ہندوذہنیت نے کبھی قبول نہیں کیا اور اس نے اس کے خلاف سازشیں شروع کر دیں اور جو جتنا بڑا سازشی تھا اُ سے اتنا ہی بڑا عہدہ اور مقام ملا ۔ انہی سازشوں کے لئے اس ملک نے باقاعدہ ادارے بنائے جن میں سب سے بڑا ادارہ ’’را‘‘ ہے کہنے کو تو یہ بھارت کی سرا غرساں ایجنسی ہے لیکن اس کی بنیادی ذمہ داری اور منشور ہی پاکستان اور چین کے خلاف کام کرنا ہے ۔ 1962 میں چین کے ہاتھوں بد ترین شکست اور 1965 میں پاکستان کے ہاتھوں ہزیمت کے رد عمل کے طور پر 1968 میں بھارت نے اپنی اس بد نام زمانہ ایجنسی کی بنیاد رکھی اور اسے جو خاص ترین مشن سونپا گیا وہ پاکستان میں مسائل پیدا کرنا تھا ۔ ’’ را ‘‘نے مشرقی پاکستان میں جو مکروہ کردار ادا کیا وہ بذات خود تاریخ کا ایک سیاہ باب ہے ۔ اسی نے مکتی باہنی اور مجیب کو بنایا اور پاکستان کی سالمیت پر حملہ کیا اور آج بھی یہ پاکستان کے مختلف علاقوں خاص کر شمالی علاقوں میں براستہ افغانستان اور بلوچستان میں براستہ افغانستان اور ایران دونوں طرف سے ملوث ہے اور مسلسل سبوتاژ اور بد امنی کی کاروائیوں میں مصروف ہے جن میں اگرچہ اُسے پاکستانی اداروں کی چابکدستی کی وجہ سے وہ کامیابی حاصل نہیں ہو رہی جتنی وہ تگ و دو کر رہاہے اور نہ انشاء اللہ اُ س کی یہ خواہش پوری ہوگی ۔ دوسری طرف خود بھارت کے اندر ایک بڑے پاکستان کا خوف اسے بلا وجہ ستاتا رہتا ہے یعنی بیس کروڑ کی دنیا کی سب سے بڑی اقلیت کا خوف جو مسلمان ہے اور یہ مسلمان اسی لئے ہر وقت عوامی ہندو عتاب کا بھی نشانہ بنتے رہے ہیں اور ریاستی دہشت گردی کا بھی اور اس کے لئے اُس کا ایک اور ادارہ مسلسل بر سرپیکار رہتا ہے اور وہ ہے آئی بی یعنی انٹیلجنس بیورو جس کا کام ملک میں اندرونی سطح پر سازشوں بلکہ حکومت مخالفوں کا خاتمہ ہے لیکن یہ بھی زیادہ تر مذہبی یا علاقائی اقلیتوں کے خلاف ہی مصروف عمل ہوتا ہے ۔ یہی آئی بی بھارت سرکار کے اہم امور میں بھی دخیل ہے اور اس کی بدنامی بھی ’’را‘‘سے کچھ کم نہیں ۔ اب اگر ان اداروں کے کام کو ذہن میں رکھا جائے تو یہ بات سمجھ میں آجاتی ہے کہ ان کے سر براہوں کے لئے کس قسم کے لوگوں کو منتخب کیا جاتا ہوگا اور اس سال بھی دو ایسے ہی اشخاص کی تعیناتی کی گئی ہے جو ان اداروں کی سربراہی میں اپنے پیشرووَں سے کسی طرح کم نہیں ۔ ان میں سے ایک اروند کمار ہے اور دوسرا سمنات گوئل ۔ اروند کمار کو آئی بی اور گوئل کو’’ را‘‘کا سربراہ بنایا گیا ہے یہ دونو ں انڈین سول سروس کے افسران ہیں ۔ ان میں گوئل جسے ’’را‘‘کے سربراہ کے طور پر تعینات کیا گیا ہے وہی شخص ہے جس نے اسی سال فروری میں پاکستان کے اندر بالاکوٹ پر ہوائی حملے کی منصوبہ سازی کی تھی یہ اور بات ہے کہ اُس کا حملہ اس بُری طرح ناکام ہوا کہ اس میں سوائے ایک کوئے کی جان کے کوئی اور جانی یا مالی نقصان نہیں ہوا ہاں چند جلے ہوئے درخت ضرور نظر آئے جو بھارت کی ناکام منصوبہ بندی اور کاروائی کی کہانی سنا رہے تھے ۔ بہر حال گوئل پاکستان کے معاملات کا ماہر مانا جاتا ہے اور یہی اس تعیناتی کی وجہ ہے ویسے بالا کوٹ کی ناکامی کے بعد تو اُس کی نوکری کو ختم ہوجانا چاہئے تھا تاہم اُس کی حکومت شاید اُس کی مہارت کا مزید فائدہ اٹھانا چاہتی ہے یہ شخص 1990 کی دہائی میں بھارتی پنجاب میں خالصتان کی تحریک کو بے رحمی سے کچلنے میں بھی شامل تھا تو ظاہر ہے اس کے رویے میں سکھوں کے لئے اب بھی وہی سختی ہوگی جو تھی اور یوں پنجاب کیڈر کے اس افسر کا رول پنجاب میں بھی اہم رہے گا اور یہ اہمیت زیادہ تر منفی ہی ہوگی ۔ دوسری ایسی ہی تعیناتی اروند کمار کی ہے جس نے پرانے آئی بی چیف راجیو جین کی جگہ لی ہے اروند کے خصے میں کشمیر میں جو مظالم اورقتل ہوں گے وہ تو ہیں ہی ساتھ ہی نکسل باڑی تحریک کو کچلنے کے لئے اس نے کیا کیا ہوگا وہ الگ کہانی ہے ۔ ایسا نہیں ہے کہ علیحدگی پسند تحریکوں کی کوئی بھی حکومت پذیرائی کرے لیکن جس بر بریت کا مظاہر ہ بھارت اور خاص کر کشمیر میں ہوتا ہے اُس کی کوئی نظیر نہیں ملتی ۔ اور یہی اروند جیسے لوگ ہیں جو ان مظالم کے پیچھے ہوتے ہیں ۔ اروند نے انہی مظالم کی داد اپنی حکومت سے تمغوں کی صورت بھی پائی ہے اور اب اس عہدے کی صورت میں بھی پا لی ہے ۔ بہرحال اب دیکھیں بھارت ناکام تجربے کرنے والے ان دونوں افسروں کی سربراہی میں مزید کتنے تجربے کرتا ہے ان کے ناکام تجربوں میں ایک تو حالیہ بالاکوٹ پر حملہ تھا اور دیگر کاموں میں بھی انہیں کو ئی خاص کامیابی یوں نہیں ملی کہ نہ تو نکسل تحریک ختم ہوسکی اور کشمیر میں تو ہر نئے دن کے ساتھ آزادی کی تحریک مزید زور پکڑتی جارہی ہے، خالصتان کی راکھ میں سے بھی کوئی نہ کوئی چنگاری اٹھتی رہتی ہے تاہم ان جیسے افسر اپنی د رندگی کی تسکین کےلئے مزید اور مزید منصوبے بناتے رہتے ہیں کامیابی اور ناکامی کی پرواہ کیے بغیر اور اب بھی گوئل اور اروند دونوں سے یہی تو قع ہے بہر حال دیکھئے یہ دونوں مل کر اپنی اس تعیناتی کے دوران کیا کچھ کرتے ہیں جس کے بارے میں کسی بہتری کی توقع ہر گز نہیں ۔

ریگولٹری اتھارٹی کسٹمز کے نام سے نیا ادارہ قائم کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد: فیڈرل بورڈ آف ریونیو(ایف بی آر) نے ملکی برآمدات کو فروغ دینے کیلیے ایڈیشنل کلکٹرزکی سربراہی میں ریگولٹری اتھارٹی کسٹمز کے نام سے نیا ادارہ قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ریگولیٹری اتھارٹی کوبرآمدی یونٹس کو لائسنس کے اجرا،تجدیدی و توسیع اور برآمدی اشیا کی اجازت دینے،درآمدی خام مال کی بونڈ ٹو بونڈٹرانسفر فاضل،اضافی سامان و آلات کو سکریپ میں رکھنے اور فروخت کرنے کی اجازت دینے سمیت دیگر اختیارات حاصل ہونگے جس کیلیے ایکسپورٹ اوریئنٹڈ یونٹس اینڈ سمال اینڈمیڈیم انٹرپرائزز رْولز 2008 میں ترامیم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے اکسپورٹ اوریئنٹڈ یونٹس اینڈ اسمال اینڈمیڈیم انٹرپرائزز رْولز 2008 میں ترامیم کا مسودہ تیار کرکے آرا کیلیے متلعقہ اسٹیک ہولڈرز کو بھجوادیا ہے اور اسٹیک ہولڈرز پندرہ دن کے اندر اندر اپنی آرا و تجاویز دے سکیں گے ۔

ختم نبوت کے قانون میں ٹمپرنگ ہوئی تو مستعفی ہوجاؤں گا، وزیر قانون

اسلام آباد: وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم نے کہا ہے کہ ختم نبوت کے قوانین سے متعلق کہیں ٹمپرنگ ہوئی تو سب سے پہلے استعفیٰ میں دوں گا۔

پاکستان علماء کونسل کے زیر اہتمام وحدت امت کانفرنس سے اظہار خیال کرتے ہوئے وزیر قانون فروغ نسیم نے کہا کہ  ختم نبوت کے بغیر پاکستان کا کوئی مقصد نہیں اور عمران خان کی بھی یہی سوچ ہے کہ پاکستان دو قومی نظریے پر قائم ہوا، اگر پاکستان سے ختم نبوت نکال لی جائی تو پھر پاکستان کو آزاد کرانے کا کوئی مقصد ہی نہیں۔

وزیرقانون نے کہا کہ ختم نبوت سے متعلق کوئی بحث حکومت کے اندر نہیں اگر کوئی ایسی بحث کررہا ہے تو وہ صرف اور صرف پروپیگنڈا کر رہا ہے جب کہ  خدانخواستہ کھبی مجھے لگے کہ ختم نبوت کے قوانین سے متعلق کہیں ٹمپرنگ ہوئی تو سب سے پہلے استعفیٰ میں دوں گا۔

فروغ نسیم نے کہا کہ علماء پر بھی زمہ داری عائد ہوتی ہے کہ معاشرے کو دین و دنیا کی بنیاد پر بہتر بنائیں، ہمارے معاشرے کے اہم معمار ہمارے علماء ہیں، کچھ لوگ کہتے ہیں کہ پاکستان کو فلاں فْلاں خطرہ ہے جب ابرحہ نے مکہ پر حملہ کیا تھا تو اللہ نے خود اپنے گھر کو بچایا تھا، پاکستان کی حفاظت بھی اللہ خود کرے گا۔

مذاکرات نہیں 13 جولائی کو ہڑتال ہوگی، تاجر تنظیموں کا متفقہ فیصلہ

اسلام آباد: آل انجمن تاجران پاکستان نے 13 جولائی کو ملک گیر ہڑتال کا اعلان کر دیا۔

صدر انجمن تا جران کاشف چوہدری کہتے ہیں کہ اگر مطالبات نہیں مانے گئے تو ملک کی ہر صنعت کو بند کر کے اس کی چابیاں ڈی چوک حکومت کے حوالے کریںگے کہ حکومت یہ نظام چلائے۔

آل پاکستان انجمن تا جر تقریب کا انعقاد اسلام آباد کے نواحی علاقہ میں کیا جائیگا، تقریب سے وزیراعظم خطاب بھی کریں گے۔

Google Analytics Alternative