Home » Author Archives: Admin (page 3027)

Author Archives: Admin

لاہور ڈی ایس پی کی 15 سالہ لڑکی سے زیادتی 

لاہور کے علاقے کاہنہ میں ڈی ایس پی نے 15سالہ لڑکی کو ہوس کا نشانہ بنا ڈالا  پولیس نے عیاش افسر کو حراست میں لے کر مقدمہ درج کر لیا ۔ اس حوالے سے معلوم ہوا ہے کہ زیادتی کا واقعہ کاہنہ کے علاقے میں پیش آیا جہاں عیاش ڈی ایس پی عمران بابر جمیل نے 15 سالہ لڑکی سونیا کو اپنی ہوس کا نشانہ بنا ڈالا ۔ پولیس نے ملزم کو حراست میں لے کر اس کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے اور لڑکی کو طبی معائنے کیلئے ہسپتال داخل کرا دیا ہے ۔

لاہور ہائیکورٹ توہین عدالت کی درخواست پر صدیق الفاروق سے جواب طلب

عدالتی احکامات کے باوجود فلیٹوں کی الاٹمنٹ کیلئے مالکانہ حقوق نہیں دیئے جا رہے درخواست گزار کی استدعا لاہور ہائیکورٹ نے توہین عدالت کی درخواست پر چیئرمین صدیق الفاروق سے جواب طلب کرلیا ۔ جمعرات کو لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شاہد بلال حسن نے غلام رسول کی درخواست پر سماعت کی ۔ درخواست گزار غلام رسول کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا کہ عدالتی احکامات کے باوجود مالکان حقوق دینے کے معاملے پر کارروائی نہیں کی ۔ اس حوالے سے متعدد مرتبہ چیئرمین کو درخواستیں دی جاچکی ہیں لیکن فلیٹ کی الاٹمنٹ نہیں کی جا رہی اس حوالے سے عدالت نے حکم دیا تھا جس پر عمل نہیں کیا گیا ۔ درخواست گزار نے استدعا کی کہ چیئرمین دیق الفارق کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی عمل میں لائی جائے ۔ عدالت نے درخواست پر چیئرمین صدیق الفاروق سے ایک ہفتے میں جواب طلب کرلیا ۔

سورن سنگھ قتل کیس  دو ملزمان نے اقبال جرم کرلیا4 کا صحت جرم سے انکار , اقبال جرم کرنے والے دونوں ملزمان جوڈیشل ریمانڈ پر دوبارہ جیل منتقل

سورن سنگھ قتل کیس میں اہم پیش رفت دو ملزمان نے اقبال جرم کرلیا 4 کا صحت جرم سے انکار  گرفتار 6 ملزمان کو دس روزہ جسمانی ریمانڈ کے بعد گزشتہ روز عدالت میں پیش کیا گیا تھا  اقبال جرم کرنے والے دونوں ملزمان جوڈیشل ریمانڈ پر دوبارہ جیل منتقل ۔ پولیس ذرائع کے مطابق تحریک انصاف خیبرپختونخوا اسمبلی کے رکن ڈاکٹر سورن سنگھ قتل کیس میں اہم پیش رفت ہوئی ہے اور گرفتار دو ملزمان نے اقبال جرم کرلیا ہے ۔سورن سنگھ کو چند روز پہلے فائرنگ کرکے قتل کردیاگیا تھا جس کے بعد ّپولیس نے مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی تھی ۔ سورن سنگھ کے قتل میں ملوث عالم خان اور اس کے ساتھی نے اعتراف جرم کرلیا جبکہ تحریک انصاف کے گرفتار رہنما بلدیوکمار سمیت چار ملزمان نے جرم ماننے سے انکار کردیا ۔ قتل کیس میں مبینہ ملوث 6 ملزمان پولیس کی دس روزہ ریمانڈ کے بعد سخت سیکورٹی میں علاقہ مجسٹریٹ سول جج فرسٹ کی عدالت میں پیش کیا گیا جس میں بہروز خان اور محمد عالم نے اپنے جرم کا اعتراف کرلیا ، جبکہ باقی چار ملزمان نے صحت جرم قبول کرنے سے انکار کردیا ۔ اس موقع پر ڈی پی او بونیر سید خالد ہمدانی ، ایس پی انوسٹی گیشن ڈسٹرکٹ پبلک پراسیکیوٹرز بھی موجود تھے ۔ اس موقع پر ڈی پی او بونیر نے بتایا کہ بہروز خان اور محمد عالم کے اعتراف جرم کے بعد ہماری کیس کی کڑیاں درست سمت میں جائیں گی ۔ ملزموں کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا ۔ یاد رہے کہ سورن سنگھ کو چند روز قبل مسلح افراد نے فائرنگ کرکے قتل کردیا تھا سورن سنگھ وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک کے مشیر تھے۔

شیخو پورہ،شب معراج پر تباہی کا بڑا منصوبہ ناکام

شیخو پورہ کے نواحی علاقے شرق پور میں شب معراج پر تباہی کا بڑا منصوبہ ناکام،فورسز کے ساتھ مقابلے کے دوران8مبینہ دہشتگرد ہلاک،4فرار ہو گئے،ملزمان کے قبضے سے6کلو گرام دھماکہ خیز مواد سمیت بھاری مقدار میں اسلحہ ،حساس مقامات کے نقشے اور چار موٹر سائیکل برآمد،واقعہ کا مقدمہ درج،فرار ہونے والے ملزمان کی تلاش شروع کر دی گئی ۔ تفصیلات کے مطابق شیخو پورہ میں ضلعی پولیس اور محکمہ انسداد دہشتگردی فورس نے شب معراج کے موقع پر دہشتگردی کا بڑا منصوبہ ناکام بنا دیا ہے اور پولیس مقابلے میں 8مبینہ دہشتگرد ہلاک ہو گئے ہیں ۔پولیس ذرائع کے مطابق یہ مقابلہ بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب رات گئے شیخو پورہ کے علاقے شرق پور میں ہوا جہاں پولیس اور سی ٹی ڈی کے اہلکاروں نے ایک اطلاع پر چھاپہ مارا۔ پولیس کو اطلاع ملی تھی کہ کچھ شدت پسند شب معراج کے موقع پر دہشت گردی کی منصوبہ بندی کر رہے تھے۔جب پولیس وہاں پہنچی تو مبینہ شدت پسندوں نے پولیس پر فائرنگ شروع کردی تاہم جوابی فائرنگ میں آٹھ مشتبہ شدت پسند ہلاک ہوگئے۔پولیس نے جائے وقوع سے چار کلاشنکوف، چار پستول، چھ کلوگرام دھماکہ خیز مواد اور چار موٹر سائیکلیں بھی قبضہ میں لے لیں۔پولیس کے مطابق ہلاک دہشت گردوں کاتعلق کالعدم تنظیم سے تھا جب کہ فرار ہونے والے دہشت گردوں کی تلاش کے لئے آپریشن شروع کردیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق ہلاک ہونے والے دہشتگردوں کے قبضے سے اسلحہ اور گولہ بارود کے علاوہ حساس مقامات کے نقشے بھی برآمد کر لیے گئے۔ تمام دہشت گردوں کی لاشیں شیخوپورہ کے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال منتقل کر دی گئی ہیں۔ خیال رہے کہ اس سے پہلے فروری میں بھی شرق پور کے علاقے میں اسی طرح کے ایک مبینہ مقابلہ میں پولیس نے سات مشتبہ شدت پسندوں کو ہلاک کیا تھا۔پولیس نے گذشتہ مہینے میں بھی لاہور اور شیخورہ کے درمیانی علاقے میں سگیاں پل کے قریب تحریک طالبان پاکستان کے چھ مشتبہ ارکان کو ایک پولیس مقابلے میں ہلاک کرنے کا دعوی کیا تھا۔لاہور میں گلشن اقبال پارک میں بم دھماکے کے بعد پولیس نے شدت پسندوں کےخلاف کارروائیاں تیز کی ہیں۔

دھوپ سے اب موتاپا کم کریں

یہ بات ثابت ہوچکی ہے کہ دھوپ جسم میں وٹامن ڈی کی تیاری میں بہت مدد دیتی ہے لیکن مناسب دھوپ بلڈ پریشر کم کرنے کے ساتھ ساتھ وزن کم کرنے میں مدد دیتی ہے۔حالیہ کچھ برسوں میں ہونے والی تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ دھوپ دل کے امراض،فالج، دمے، بلڈ پریشر اور موٹاپے کو دور کرسکتی ہے۔ وٹامن ڈی ہماری ہڈیوں اور دانتوں کو مضبوط بنانے کے علاوہ پیٹ کے کینسر سے بھی بچاتا ہے لیکن سورج کی شعاعوں کے دیگر بہت سے طبی فوائد حاصل ہوتے ہیں۔جدید تحقیق کے مطابق دھوپ جسم میں نائٹرک آکسائیڈ بنانے میں مدد دیتی ہے جو دل کے نظام کی حفاظت کرتا ہے۔ اس کے علاوہ دماغ میں موڈ بہتر بنانے والے کیمیکل سیراٹونن کی افزائش میں بھی دھوپ مددگار ہوتی ہے۔ اسٹاک ہوم کے مشہور کیرولنسکا انسٹی ٹیوٹ کا کہنا ہے کہ اگر آپ دھوپ میں نہیں بیٹھ رہے تو یہ سگریٹ پینے کے برابر نقصان دہ ہے۔ماہرین کے مطابق دھوپ سینکنے کا ایک فائدہ یہ بھی ہے کہ اس سے جسم میں جلن اور سوزش کی کمی ہوتی ہے۔ جلن (انفلیمیشن)مسلسل ہوتو امراضِ قلب اور کینسر وغیرہ کی وجہ بنتی ہے۔ اس کے علاوہ دھوپ کھانے کا عمل ذیابیطس کے خطرے کو کم کرتا ہے اور موٹاپے کو دور کرتا ہے۔صبح 10سے 11بجے کی دھوپ جسم میں وٹامن ڈی بنانے کے ساتھ ساتھ بلڈ پریشر کو بھی کنٹرول کرسکتی ہے۔اس میں کوئی شک نہیں کہ دھوپ جلد کے کینسر کی وجہ بنتی ہے لیکن دھوپ میں بیٹھنا ضروری بھی ہے۔ اس کا حل ماہرین نے یہ پیش کیا ہے کہ 11سے 3بجے کے دوران دھوپ سے گریز کیا جائے۔ اس کے علاوہ مناسب لباس اور دھوپ کے چشمے استعمال کیے جائیں اور اگر سن پروٹیکشن فیکٹر (ایس پی ایف15) کا کوئی سن بلاک استعمال کیا جائے تو بہت اچھا ہوگا۔

مچھلی یاداشت بڑھانے کا سبب بن سکتی ہے

یوں تو بادام کھانا دماغی صحت کے لئے مفید قرار دیا جاتا ہے لیکن اب ماہرین نے یہ انکشاف کیا ہے کہ مچھلی کھانا بھی یاداشت بڑھانے کا سبب بن سکتا ہے۔جی ہاں امریکہ میں ہونے والی ایک تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ ہفتے میں ایک بھی مچھلی کھانا یاداشت کے لئے فائدہ مند ثابت ہو سکتا ہے۔تحقیق میں کہا گیا کہ جو لوگ بھنی ہوئی یا بیکڈمچھلی کو اپنی خوراک کا حصہ بناتے ہیں ان کی یاداشت میں اضافہ ہونے کے امکانات بڑھ جاتے ہیں اور اس سے دماغ کو توانائی ملتی ہے۔

پیٹ میں گیس کا باعث بننے والی غذائیں، اور ان کا حل

ویسے تو یہ صحت بخش غذائیں یا پھل ہیں مگر اکثر یہ معدے یا چھوٹی آنت میں گیس پیدا ہونے کے باعث بھی بن جاتے ہیں۔

اس کے نتیجے میں پیٹ پھول جاتا ہے جبکہ معدے میں تکلیف ہونے لگتی ہے تو پہلے تو یہ جان لیں کہ کونسی غذائیں اس کا باعث بنتی ہیں جس کے بعد ان کے علاج پر بات ہوگی۔

تربوز

موسم گرما کی یہ سوغات میٹھی اور تازہ دم کردیتی ہے تاہم یہ معدے میں گیس یا پھولنے کا باعث بھی بن سکتی ہے، درحقیقت اس پھل میں چینی کی قدرتی شکل fructose کی مقدار بہت زیادہ ہوتی ہے جسے پوری طرح ہضم کرنے میں اکثر معدہ ناکام رہتا ہے جس کے نتیجے میں گیس پیدا ہوتی ہے۔ ہر تین میں سے ایک شخص تربوز کھانے کے بعد اس تکلیف کا شکار ہوتا ہے۔

زیادہ بو والی سبزیاں

سبزیاں جن کی بو بہت تیز ہوتی ہے جیسے سبز پیاز، لہسن، پیاز وغیرہ میں فائبر کی ایک قسم فریوکٹانس کی مقدار کافی زیادہ ہوتی ہے اور ہمارے معدے کے لیے اسے توڑ کر ہضم کرنا آسان نہیں ہوتا جس کے نتیجے میں پیٹ کے مختلف مسائل جیسے گیس اور پھولنے وغیرہ سامنے آتے ہیں۔

بلیک بیریز

ویسے تو یہ پاکستان میں اتنا عام پھل نہیں مگر مل ضرور جاتا ہے جو کہ اینٹی آکسائیڈنٹس سے بھرپور ہوتا ہے مگر اس میں ایک جز polyols کی مقدار کافی زیادہ ہوتی ہے جو کہ نظام ہضم میں کافی وقت تک موجود رہتا ہے اور عام طور پر پوری طرح ہضم نہیں ہوتا جس کے نتیجے میں پیٹ پھولنے یا ریاح وغیرہ کا سامنا ہوتا ہے۔

آم

آم کو تو پھلوں کا بادشاہ کہا جاتا ہے اور سامنے ہو تو کسی کے لیے بھی ہاتھ روکنا مشکل ہوجاتا ہے مگر اس میں گلوکوز کے مقابلے میں fructose کی مقدار زیادہ ہوتی ہے اور یہ عدم توازن جسم کے لیے ہضم کرنا مشکل ہوجاتا ہے، جب بھی ایسا ہوتا ہے تو پیٹ کے پھولنے، گیس یا دیگر مسائل درپیش ہوسکتے ہیں۔

آلو بخارے

آلو بخارے بھی polyols کی مقدار کافی زیادہ ہوتی ہے اور اس کے نتیجے میں معدے کے بیکٹریا میں ہلچل پیدا ہوتی ہے جو گیس یا پیٹ پھولنے کا باعث بنتی ہے۔

سیب

سیب میں موجود قدرتی مٹھاس اگر ہضم نہ ہو تو اس کے نتیجے میں پیٹ پھولنے، ہیضے اور معدے کے دیگر مسائل کا سامنا ہوتا ہے۔

گیس سے نجات قدرتی اور ڈاکٹر کے خرچے کے بغیر نجات چاہتے ہیں تو ان چیزوں کو استعمال کرکے دیکھیں۔

زیرہ

ایک کپ ابلے ہوئے پانی میں ایک سے دو چائے کے چمچ پسے ہوئے زیرے کو ملائیں، دس سے پندرہ منٹ تک ٹھنڈا ہونے دیں اور پھر پی لیں۔ دن میں دو سے چار بار کھانے کے دوران اس کا استعمال کرنا فائدہ مند ثابت ہوگا۔

اجوائن

ایک کپ ابلے ہوئے پانی میں ایک چائے کا چمچ اجوائن ملائیں اور دس سے پندرہ منٹ تک ٹھنڈا ہونے دیں اور پھر اسے کھانے سے پہلے یا بعد میں پی لیں۔

سونف

ایک کپ گرم پانی میں ایک سے دو چمچ پسی ہوئی سونف کو ملائیں، دس سے پندرہ منٹ تک ٹھنڈا کریں اور پی لیں۔ اسے کھانے سے پہلے یا بعد پی لیں۔

اب سوشل میڈیا نفسیاتی مریض بناتی ہے, دلچسپ تحریر سامنے

ماہرین کے مطابق فیس بک کے پوسٹس پر کم لائیکس یا کمنٹس ملنے پر لوگوں کے نفسیاتی امراض میں مبتلا ہوکر ہسپتال میں داخل ہونے کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے۔رانچی انسٹی ٹیوٹ آف نیورو سائیکیاٹری کے شعبہ کلینیکل سائیکالوجی کے چیف ڈاکٹر امول سنگھ رنجن کے مطابق عمر کے مختلف حصوں سے تعلق رکھنے والے کم از کم 20 مریض سوشل میڈیا پر ضرورت سے زیادہ وقت گزارنے کے باعث ان کے ہسپتال میں منتقل کیے جارہے ہیں۔<br/> ان کا کہنا تھا کہ ‘ورچیول دنیا اب لوگوں کی زندگی کا اہم حصہ بن چکی ہے۔ ہم سوشل میڈیا کی لت کے باعث ہسپتال میں داخل کروائے گئے مریضوں کی تعد پر حیران رہ جاتے ہیں۔اسمارٹ فونز کے استعمال میں اضافے کے باعث سوشل میڈیا کا استعمال صرف شہروں میں ہی نہیں بلکہ دیہاتوں میں بھی کثرت سے شروع ہوگیا ہے تاہم ڈاکٹرز کو خدشہ ہے کہ اس کے باعث لوگ حقیقی دنیا سے دور ہورہے ہیں اور نفسیاتی امراض کا شکار بن رہے ہیں۔ڈاکٹر رنجن نے یہاں ایک لڑکی کی مثال دی جو کاو¿نسلنگ سیشن کے دوران فیس بک پر اپ لوڈ کی گئی اپنی ایک تصویر اور اس پر ملنے والے ردعمل کے حوالے سے ہی بات کرتی رہی۔انہوں نے بتایا کہ مریضہ نے پورے سیشن کے دوران صرف سوشل میڈیا دوستوں کے بارے میں ہی بات کی جن سے وہ کبھی نہیں ملی تھی۔ان کا کہنا تھا کہ اس طرح کے مریضوں کا علاج کاو¿نسلنگ کے ذریعے ممکن ہے تاہم اگر انہیں زیادہ عرصے سوشل میڈیا سے دور رکھا جائے تو وہ پرتشدد حرکتیں شروع کردیتے ہیں۔ڈاکٹر نیہا سید کے مطابق متعدد افراد فیس بک پر نقل اتارے جانے یا پھر ان کی فرینڈ ریکیوئسٹ مسترد کیے جانے پر خودکشی کی کوشش کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہر ماہ کم از کم دس ایسے کیسز ان کے سامنے آتے ہیں جو سوشل میڈیا کے باعث ڈپریشن کا شکار ہوتے ہیں اور ان میں خودکشی کا رجحان بھی موجود ہوتا ہے.

Google Analytics Alternative