Home » Author Archives: Admin (page 4)

Author Archives: Admin

بیٹے کی تیمور سے حیرت انگیز مشابہت پر سنی لیون بول پڑیں

ممبئی: نامور بالی ووڈ اداکارہ سنی لیون نے اپنے بیٹے اشر کا موازنہ کرینہ کپور کے بیٹے تیمور علی خان سے کیے جانے پر ردعمل ظاہر کیا ہے۔

بالی ووڈ کی بے بو کرینہ کپور اور سیف علی خان کا بیٹا تیمورعلی خان بھارت کا  سب سے زیادہ مقبول بچہ ہے، جس نے دنیا میں آنے کے بعد سے ہی میڈیا پر تہلکہ مچارکھا ہے۔ تیمور جیسی شہرت کسی بچے کوتو کیا کسی سپر اسٹار کو بھی بڑی جدوجہد کے بعد نصیب ہوتی ہے۔ اب تک تو تیمور ہی بالی ووڈ کا لاڈلہ بچہ تھا لیکن اب میڈیا میں سنی لیون کے بیٹے اشر کا موازنہ تیمور سے کیا جارہا ہے۔

چند روز قبل سنی لیون کی ایک تصویر میڈیا پر وائرل ہوئی جس میں وہ اپنے بیٹے اشر کو گود میں اٹھائے ہوئے تھیں، یہ تصویر منظرعام پر آنے کے بعد گویا سوشل میڈیا پر طوفان آگیا، وجہ تھی اشر کی تیمور سے بے انتہا مشابہت۔ بہت سارے لوگ تو دونوں بچوں میں فرق ہی نہیں کرپائے۔ ایک صارفین نے اپنی حیرت کا مظاہرہ کرتے ہوئے لکھا ایک پل کے لیے تو میں نے سوچا سنی لیون شاید تیمور کو گود میں اٹھائے ہوئی ہیں۔

اداکارہ سنی لیون سے جب تیمور اور اشر کی مشابہت اور سوشل میڈیا پر دونوں بچوں کا موازنہ کیے جانے پر بات کی گئی تو انہوں نے ردعمل دیتے ہوئے کہا ہاں مجھے معلوم ہے سوشل میڈیا پر دونوں کا موازنہ کیا جارہا ہے۔

سنی لیون نے دونوں بچوں کی تعریف کی اور دونوں کی بے انتہا مشابہت کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا اشر کا چھوٹا سا گولو چہرہ ہے اور تیمور کا چہرہ بھی ایسا ہی ہے۔ سوشل میڈیا وہی کرے گا جو اسے کرنا ہوگا، تیمور بہت پیارا بچہ ہے اور اشر بھی قابل ستائش ہے۔

واضح رہے کہ سنی لیون کے تین بچے ایک بیٹی نشا اور دو جڑواں بیٹے اشر اورنواہ ہیں۔ نشا کو سنی اور ان کے شوہر نے گود لیاتھا۔

ایکسپورٹ سیکٹر کے لیے گیس اور بجلی کا نیا ٹیرف جلد آنے کا امکان

لاہور: 5ایکسپورٹ سیکٹرز کیلیے گیس اوربجلی کے نئے ٹیرف کا نوٹیفکیشن جلد جاری کیا جائے گا۔

سیکریٹری خزانہ نوید کامران بلوچ نے آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن (اپٹما) کو یقین دہانی کرائی ہے کہ 5ایکسپورٹ سیکٹرز کیلیے گیس اوربجلی کے نئے ٹیرف کا نوٹیفکیشن جلد جاری کیا جائے گا۔

کو اپٹما کے نمائندے نے بتایا کہ پیر22جولائی کووزارت بجلی و پٹرولیم کے حکام کے ساتھ ایک اجلاس ہوگا جس میں بجٹ2019-20 پیش کیے جانے کے بعد پیدا ہونے والے مسائل پرغورکیاجائے گا۔

’’رانگ نمبر ٹو‘‘ کا 7ویں ہفتے بھی بہتری بزنس، 20 کروڑ کما لیے

لاہور: ’’رانگ نمبرٹو‘‘ کا ساتویں ہفتے میں بھی بہتری بزنس جاری، مجموعی بزنس 20کروڑ سے تجاوز کرگیا۔

ڈسٹری بیوشن کلب کے تعاون سے بنائی گئی فلم کی اسٹار کاسٹ میں سمیع خان اور نیلم منیر شامل ہیں۔ عید الفطر پر سینماؤں کی زینت بننے والی رومانوی کامیڈی فلم ’’رانگ نمبر2‘‘ کا سرکٹ کے تمام سنیماؤں میں تاحال بہتری بزنس جاری ہے اور لالی وڈ کی جانب سے پیش کردہ نئی فلمیں بھی ’’رانگ نمبرٹو‘‘ کے بزنس کو زیادہ متاثر نہیں کرسکیں۔

ٹریڈ حلقوں کے مطابق رانگ نمبر ٹو کو ریلیز ہوئے ڈیڑھ مہینہ گذر چکا ہے تاہم فلم کی ڈیمانڈ ختم نہیں ہوسکی اور سرکٹ کے بیشتر شہروں میں رانگ نمبرٹو حال ہی میں ریلیز ہونے والی دیگر فلموں کے برابر بزنس کر رہی ہے جو اس حقیقت کا ثبوت ہے کہ دلچسپ کہانی پر مبنی معیاری فلمیں آج بھی شائقین کی پہلی پسند ہیں۔

رانگ نمبر ٹو میں سمیع خان اور نیلم منیر کے علاوہ یاسر نواز اور اداکارہ ثنا نے دوسری لیڈ جوڑی کے کردار ادا کیے ہیں۔

(ن) لیگی خاتون رہنما فوزیہ ایوب قریشی کے گھرسے 4 من چرس برآمد

بہاولپور: اینٹی نارکوٹکس فورس نے مسلم لیگ (ن) کی سابق خاتون رکن اسمبلی فوزیہ ایوب قریشی کے گھر سے 4 من چرس برآمد کرکے ان کے بیٹے کو گرفتار کرلیا ہے۔

اینٹی نارکوٹکس فورس نے بہاولپور میں مسلم لیگ (ن) کی سابق خاتون رکن اسمبلی فوزیہ ایوب قریشی کے گھر پر چھاپہ مارا ، کارروائی کے دوران گھر سے 5 من چرس برآمد ہوئی۔ اے این ایف اہلکاروں نے فوزیہ ایوب کے بیٹے طیب ایوب کو گرفتار کرلیا۔

دوسری جانب اینٹی نارکوٹکس فورس نے بہاولپور سے ہی (ن) لیگ کے سابق امیدوار صوبائی اسمبلی اسلم رند کے بیٹے عدیل اسلم کو بھی گرفتار کرلیا۔ اے این ایف نے دونوں ملزمان سے تفتیش شروع کردی ہے۔

مکمل سونے سے تیار کردہ فون خریدنا پسند کریں گے؟

شیاﺅمی ایسی کمپنی ہے جو اپنے مناسب قیمت والے فونز کی وجہ سے جانی جاتی ہے مگر اس کا مطلب یہ نہیں کہ یہ مہنگی ڈیوائسز تیار نہیں کرسکتی۔

درحقیقت آپ اس کمپنی کا مکمل طور پر سونے سے تیار فون خرید سکتے ہیں، اگر آپ بھارت میں موجود ہوں تو۔

شیاﺅمی نے گزشتہ دنوں بھارت میں اپنی ریڈمی کے 20 سیریز کے فونز متعارف کرائے تھے۔

کے 20 پرو کی قیمت 405 ڈالرز (64 ہزار پاکستانی روپے سے زائد) رکھی گئی تھی جس میں اسنیپ ڈراگون 855 پراسیسر، سکس جی بی ریم، ان ڈسپلے فنگر پرنٹ سنسر اور 3 بیک کیمروں کا سیٹ اپ قابل ذکر فیچر ہیں۔

تاہم اس کا کمپنی نے ایک خصوصی ایڈیشن بھی تیار کیا ہے جس کی قیمت 7 ہزار ڈالرز (11 لاکھ پاکستانی روپے سے زائد) رکھی گئی ہے۔

اور ہاں یہ سونے کے پانی سے مزئین نہیں بلکہ مکمل طور پر سونے سے ہی تیار کیا گیا ہے جبکہ اس کی زیبائش بڑھانے کے لیے ہیروں کو بھی استعمال کیا گیا ہے، جس کی تصدیق کمپنی نے اپنے ایک ٹوئیٹ میں کی۔

اس خصوصی ایڈیشن کے فیچرز سستے ورژن جیسے ہی ہیں بس اس کی خوبصورتی نے اس کی قیمت کو کئی گنا زیادہ بڑھا دیا ہے، اور اس طرح یہ شیاﺅمی کا سب سے مہنگا فون بھی بن گیا ہے۔

اس فون کے صرف 20 یونٹ ہی تیار کیے گئے ہیں، یعنی خریدنے والوں کے پاس مواقع بہت کم ہیں۔

ویسے اکثر اسمارٹ فونز کے گولڈ ایڈیشن سامنے آتے رہتے ہیں مگر عام طور پر کمپنیاں خود اس طرح کے ایڈیشن تیار کرنے سے گریز کرتی ہیں۔

ایران نے برطانوی جہاز کو قبضے میں لینے کی ویڈیو جاری کردی

تہران: ایران نے برطانوی بحری جہاز ’دی سٹینا امپیرو‘  کو تحویل میں لیے جانے کی کارروائی کی مکمل ویڈیو جاری کردی۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق ایران نے برطانوی آئل ٹینکر پر پاسداران انقلاب کے اہلکاروں کے قبضے کی کارروائی کی ویڈیو جاری کردی ہے جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ 4 کشتیوں نے آئل ٹینکر کو چاروں طرف سے حصار میں لے رکھا ہے اور ایک ملٹری ہیلی کاپٹر آئل ٹینکر کے اوپر محو پرواز ہے۔

دوسرے ہی لمحے پاسداران انقلاب کے نقاب پوش اہلکار برطانوی آئل ٹینکر کے اندر داخل ہوجاتے ہیں اور عملے کو تحویل میں لے لیتے ہیں۔ اس ویڈیو کو دو کیمروں کی مدد سے فلم بند کیا گیا ہے، ایک کیمرہ مین اسپیڈ بوٹ پر سوار ہے جب کہ دوسرے نے ہیلی کاپٹر سے فلم بندی کی۔

ادھر ایران کے وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ قبضے میں لیے گئے برطانوی آئل ٹینکر کے عملے کے 23 ارکان مکمل خیریت سے ہیں۔ عملے میں زیادہ تر بھارتی، فلپائنی اور روسی شہری شامل ہیں۔

دوسری جانب برطانوی بحری جہاز دی سٹینا امپیرو کی ملکیت رکھنے والی کمپنی کے مالک نے عملے کے ارکان سے ملنے کی اجازت حاصل کرنے کے لیے قانونی چارہ جوئی کا آغاز کردیا ہے۔

واضح رہے کہ ایران نے گزشتہ روز آبنائے ہرمز میں برطانوی آئل ٹینکر کو  پورٹ انتظامیہ اور میری ٹائم آرگنائزیشن کی جانب سے عالمی قوانین کی خلاف ورزی کی نشاندہی پر تحویل میں لیا تھا۔ برطانیہ نے اپنے بحری جہازوں کو تحویل میں لینے پر ایران کو سنگین نتائج بھگتنے کی دھمکی بھی دی تھی۔

پیشاب میں جلن اور تکلیف کن امراض کی علامت ہوسکتی ہے؟

جسم سے پیشاب کا اخراج بہت اہمیت رکھتا ہے کیونکہ گردے اضافی پانی اور کچرے کو خون سے فلٹر کرتا ہے اور اسے مثانے میں منتقل کردیتا ہے۔

اوسطاً ایک فرد روزانہ چار سے چھ بار پیشاب کرتا ہے اور چار گھنٹے کے اندر ایک چکر لگ ہی جاتا ہے۔

تاہم جب پیشاب کرتے وقت ہر بار جلن اور تکلیف کا احساس ہو تو یہ خطرے کی گھنٹی ضرور ہوسکتی ہے۔

درحقیقت یہ مختلف امراض کی علامت ہوسکتی ہے جو درج ذیل ہے۔

پیشاب کی نالی میں سوزش

پیشاب کی نالی میں سوزش یا انفیکشن بہت زیادہ تعداد میں بیکٹریا جمع ہونے کے نتیجے میں ہوتا ہے، جسم کا یہ حصہ گردوں سے مثانے تک آتا ہے جس کے نتیجے میں پیشاب کرتے ہوئے جلن اور تکلیف کا احساس ہوسکتا ہے، اس کی دیگر علامات میں زیادہ پیشاب آنا، پیشاب میں جھاگ یا خون، بخار، بدبودار پیشاب، پہلو اور کمر میں تکلیف۔

مثانے کا انفیکشن

مثانے میں انفیکشن کے نتیجے میں ورم ہوسکتی ہے جس کے نتیجے میں پیشاب میں جلن، پیشاب کرنے میں مشکل، مثانے اور ارگرد کے حصے میں تکلیف، رات کو معمول سے زیادہ پیشاب آنے جیسی علامات سامنے آتی ہیں۔

گردوں میں پتھری

گردوں میں پتھری کیلشیئم یا یورک ایسڈ کے اجتماع کا نتیجہ ہوتا ہے اور بہت تکلیف دہ مرض ثابت ہوتا ہے، پیشاب میں جلن کے ساتھ ساتھ پہلو اور کمر میں درد، پیشاب کی رنگت گلابی یا بھوری ہوجانا، جھاگ دار پیشاب، قے، دل متلانا، درد کی شدت میں تبدیلی آنا، بخار، ٹھنڈ محسوس ہونا اور معمول سے کم مقدار میں پیشاب آنا۔

کیمیکل کی حساسیت

کئی بار مخصوص کیمیکلز جیسے پرفیوم وغیرہ جسمانی ٹشوز کو متاثر کرتے ہیں، جس سے پیشاب کرتے ہوئے جلن کا احساس ہوتا ہے۔

مخصوص ادویات

مخصوص ادویات کا استعمال مثانے کے ٹشوز کو متاثر کرتا ہے جس کے باعث پیشاب کرتے ہوئے تکلیف اور جلن کا احساس ہوتا ہے، اگر کوئی نئی دوا کھانے سے اس طرح کی علامات کا سامنا ہو تو یہ دوا کا سائیڈ ایفیکٹ ہوسکتا ہے۔

ڈاکٹر سے کب رجوع کریں؟

پیشاب میں تکلیف اور جلن کا تجربہ ہو اور یہ مسئلہ کئی دن تک برقرار رہے جبکہ اس کے ساتھ پیشاب میں خون، پہلو یا کمر میں درد، 24 گھنٹے سے زائد درد برقرار رہنا اور بخار جیسی علامات ہوں تو فوری ڈاکٹر سے رجوع کریں۔

مسلمان امن کے پجاری ہیں

دنیا کا شاید ہی کوئی ملک ہو جہاں پر مسلمان بستے نہ ہوں ۔ دنیا کے اکثر ممالک میں مسلمان مستقل شہری ہونے کے علاوہ کئی ممالک میں باسلسلہ روزگار بھی مقیم ہیں ۔ تقریباً دنیا کے ہر خطے میں اپنی موجودگی کو اپنے کرداراورا پنی صلاحیتوں سے جلا بخشنے والے مسلمان کسی بھی ملک اور اس کے معاشرے کیلئے کبھی بھی بازحمت نہیں رہے ۔ ہر معاشرے کو اپنی ذہنی اور جسمانی صلاحیتوں سے چار چاند لگانے والے مسلمان اپنی اسلامی تعلیمات کے زیر اثر کسی کو بھی نقصان پہنچانے کے روادارنہیں ۔ امن اورآشتی صلح و شانتی سے رہنا اوردوسروں کیلئے آسانی پیدا کرنا اور اپنے حق سے برتر دوسرے کا حق ادا کرنا مسلمانوں کاشیوا رہا ہے ۔ مسلمان ہمیشہ فساد برپا کرنے سے گریز کرتا ہے اورچاہتا ہے کہ کسی طرح بھی فساد کا سبب نہ بنے کیونکہ قرآن پاک میں اللہ تعالیٰ کا حکم ہے کہ اے ایمان والو زمین میں فساد برپا نہ کرو ۔ اگر وہ کوئی ایسا کام کرتا ہے تو وہ اللہ کے حکم عدولی کا مجرم بنتا ہے ۔ اس لیے مسلمان اکثر اس وجہ سے بھی مار کھا جاتا ہے کہ وہ اللہ کے حکم کی پابندی اور اسلامی تعلیمات کی تقلید کر رہا ہوتا ہے ، نہ وہ بزدل ہوتا ہے اور نہ ہی کمزور لیکن شریعت اسلامی کے تحت وہ کوشش کرتا ہے کہ زمین میں فساد کا سبب نہ بنے اس پریہ سمجھا جاتا ہے کہ مسلمان کمزور یا بزدل ہے اپنا حق نہیں لے سکتا ۔ میں ماضی کا حوالہ نہیں دیتا بلکہ حال میں موجود مفلوک الحال مسلمانوں کی امثال سے یہ دکھانا چاہتا ہوں کہ مسلمان بزدل نہیں بلکہ امن کے پجاری ہیں ورنہ چاہیں تو دنیا میں ہر طرف فساد ہی فساد برپا ہو جائے ۔ اس خام خیالی کی مثال کیلئے چیچن مسلمانوں کی مثال کافی ہو گی ۔ جب حق لینے کی ٹھان لیں تو پھر دنیا کی بڑی سے بڑی طاقت ان کے پاءوں کی دھول بن جاتی ہے ۔ اس معاملے میں طالبان نے بھی ثابت کیا کہ جب مسلما ن ضد پر آجائے تو اپنا آپ اجاڑ لیتا ہے لیکن دشمن کو بھی سر کے بال اور پاءوں کی جوتی میں فرق محسوس نہیں ہوتا ۔ افواج پاکستان نے بھی اپنی دلیری اور اپنے ہم وطنوں کی حفاظت کیلئے ہر قربانیاں دے کر ثابت کیا ہے کہ اپنے سے کئی گنا بڑی طاقت سے بھی ٹکرا نا ہم جانتے ہیں ۔ میں مثال دیتا ہوں اپنے میانمار کے مسلمانوں کی جن کے خلاف بدھ بھکشوں نے کیا کیا ظلم نہیں کیے لیکن انہوں نے اس کے بدلہ میں معاشرے میں فساد برپا نہیں کیا ۔ دنیا نے دیکھا کہ بوسنیا کے مسلمانوں کے ساتھ کیا نہیں بیتی لیکن انہوں نے مزاحمت میں حد سے گزر جانے کی کبھی کوشش نہیں کی ۔ فلسطین کے مسلمان ظلم پر ظلم برداشت کر رہے ہیں لیکن انہوں نے کبھی بھی عام اسرائیلی یہودی کو اس طرح نقصان پہنچانے کی کوشش نہیں کی وہ صرف عسکری و حربی یہودی فوجیوں کے خلاف کوئی کارروائی کرتے ہیں ۔ کشمیر میں مسلمان کیا کچھ نہیں سہ رہا لیکن وہاں پر چند فیصد ہندوءوں کو کبھی انہوں نے تنگ نہیں کیا اور نہ ہی ان کیلئے زندگی کو تنگ کیا ۔ دنیا میں کئی مذاہب کے پیروکار ہیں جن میں اکثریت کے ساتھ عیسائی ہندو بدھسٹ سکھ یہودی ہیں ۔ ان کے علاوہ بھی دیگر جو غیر مسلم مذاہب کے پیروکار ہیں وہ مسلمانوں سے نفرت کرنے میں ان بڑے مذاہب کے تقلید کار ہیں ۔ یہ اپنی فطرت نہیں بدلتے اور مسلمان اپنے اللہ کے قانون سے اغراض نہیں برتا ۔ تو اپنی خو سے باز نہیں آتا تو ہم اپنی فطرت کیسے بدل لیں ۔ مسلمان تو اللہ کی رضا اور اس کے حکم پر راضی برضا ہوتا ہے ۔ اللہ تعالیٰ کا حکم زمین میں فساد نہ پھیلانے کا ہے تو ہم اللہ کے حکم کی تعمیل کرتے ہیں ۔ جہاد فی سبیل اللہ کا حکم بھی اللہ تعالیٰ کا ہی ہے اور جب حالات اس نہج پر پہنچ جائیں گے تو جہاد کا حکم بھی فرض ہو جائے گا ۔ جب جہاد غیر مسلم اقوام کے مظالم کے جواب میں فرض ہو گیا تو پھر اس کی ادائیگی کیلئے ہر مسلمان کوشش کرے گا تو ایسے میں مزاحمت کی ایک لہر اٹھے گی جس میں چھوٹے مذاہب کی کیا اہمیت ہوگی وہ خود انہیں معلوم ہے ۔ چھوٹے مذاہب کے پیروکاروں میں وہ طاقت نہیں کہ وہ مسلمان اقوام کی کسی بھی جہادی لہر کا سامناکر پائیں ۔ یہاں پر یہ لکھنا بھی ضروری ہے کہ اقوام عالم لاکھ چاہیں اور کوشش کریں کہ مسلمانوں کو چن چن کر مارنے کی ہر کوشش کربھی لیں تو وہ نہ تو مسلمان ختم کر سکتے ہیں اور نہ ہی وہ اسلام کو سرنگوں کر سکتے ہیں ۔ یہ اللہ کا وعدہ ہے جو سچ ہو کر رہے گا ۔ شکست کفار کامقدر ہے خواہ وہ آج فاتح اور مسلمان مفتوح ہیں لیکن وہ دن دور نہیں جب کفار سرنگوں ہو کر شکست سے دوچار ہو جائیں گے ۔ انہیں اللہ اوررسول اللہ ﷺ کو تسلیم کر کے ان کے آگے سرنگوں ہونا پڑے گا ۔ قیامت کی زیادہ دور کی بات نہیں قیامت اب قریب ہے ۔ کیونکہ اقوام عالم کا کردار مسلمانوں کی حالت زار سے یہ نظر آ رہا ہے کہ قیامت قریب ہے ۔ اقوام عالم مسلمانوں کو رد عمل کیلئے مجبور کر رہی ہیں جس کے جواب میں آج نہیں تو کل تو ضرور کچھ نہ کچھ ہو گا ۔ چنگاری کو جب اور جیسے ہوا ملے گی تو وہ اس کے مطابق بھڑکے گی ۔ اس بھڑک میں کوئی شعلہ پیدا ہو کر وہ آگ پیدا کرے گا جو بجھائے نہ بجھے گی ۔ چھوٹے اسلحہ کے استعمال سے درمیانے درجے کے ہتھیار اور پھر بھاری ہتھیاروں کے استعمال سے بات جوہری اسلحہ کے استعمال تک جائے گی کیونکہ روایتی اسلحہ جب ختم ہونے کو آئے گا تو جوہری اسلحہ پھر لازمی استعمال ہوگا ۔ استعمال اپنے بچاءو کیلئے ہی ہوگا لیکن استعمال ضرور ہوگا ۔ اقوام عالم کے رہنماءوں کو چاہیے کہ کوشش کریں کہ مسلمانوں کے خلاف رنجش کو اپنے معاشروں میں کم کرنے کیلئے بیان بازی سے گریز کریں ۔

Google Analytics Alternative