Home » Author Archives: Admin (page 9)

Author Archives: Admin

بغیر کھڑکی والے طیارے اسکرین پر باہر کا پورا منظر دکھائیں گے

لندن: فضائی سفر کے دوران اکثر و بیشتر مسافروں کے درمیان کھڑکی والی نشست حاصل کرنے پر جھگڑا رہتا ہے اور زیادہ تر مسافر بورڈنگ کے وقت خصوصی طور پر کھڑکی والی نشست کی خواہش کرتے ہیں تاکہ وہ فضائی سفر میں اونچائی سے باہر کے مناظر سے لطف اندوز ہوسکیں۔

مسافروں کی شدید خواہش کو مدنظر رکھتے ہوئے ایک برطانوی ٹیکنالوجی فرم نے جدت لاتے ہوئے مستقبل میں طیاروں کو اس طرح ڈیزائن کرنے کا پروگرام بنایا ہے جس میں پورا طیارہ آسمان کے پینورامک ویو (چاروں طرف پھیلے ہوئے منظر) میں تبدیل ہوجائے گا۔

اس نئی ٹیکنالوجی کے ذریعے مستقبل میں طیاروں کی کھڑکیاں ختم کردی جائیں گی اور  پورا طیارہ ’او ایل ای ڈی‘ ٹچ اسکرین سے ڈھک دیا جائے گا جس سے ہر نشست ایک قسم کی ’ونڈو سیٹ‘ بن جائے گی۔

یہ ٹچ اسکرینز طیارے کے باہر لگے کیمروں سے منسلک ہوں گی جو باہر کا حقیقی منظر ہر نشست پر پیش کریں گی جب کہ مسافر اپنی مرضی سے ’او ایل ای ڈی‘ پر مناظر  کے بجائے اینٹرٹینمنٹ سسٹم کے ذریعے دیگر پروگرام دیکھ سکیں گے۔

اگر آپ ’’او ایل ای ڈی‘‘ کے بارے میں نہیں جانتے تو بتاتے چلیں کہ یہ ’’آرگینک لائٹ ایمٹنگ ڈایوڈ‘‘ کا مخفف ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ اس میں نامیاتی مرکبات (آرگینک کمپاؤنڈز) پر مشتمل ایک ایسی پتلی فلم ہوتی ہے جس میں سے بجلی گزاری جاتی ہے تو وہ روشنی خارج کرتی ہے۔

یہ ٹیکنالوجی ٹیلی ویژن، ٹیبلٹ کمپیوٹرز، موبائل فونز اور کمپیوٹر مانیٹرز میں استعمال ہورہی ہے۔ جب تک یہ طیارے حقیقت میں تیار کیے جائیں گے، امید ہے کہ تب تک اس سے کہیں زیادہ جدید اور بہتر او ایل ای ڈی ڈسپلے مارکیٹ میں آچکے ہوں گے۔

ملک بھر میں ڈینگی کے کیسز کی تعداد 50 ہزار کے قریب پہنچ گئی

اسلام آباد: ملک بھر میں ڈینگی کے پھیلاؤ نے ایک مرتبہ بھر نیا ریکارڈ قائم کردیا اور رواں برس کے دوران اب تک 49 ہزار 5 سو 87 افراد اس سے متاثر ہوئے ہیں جبکہ دو ہفتے سے بھی کم وقت میں 5 ہزار سے زائد کیسز سامنے آئے ہیں۔

اس سے قبل ملک میں ڈینگی کے سب سے زیادہ کیسز 8 برس قبل رپورٹ کیے گئے تھے اور 2011 میں 27 ہزار افراد ڈینگی سے متاثر ہوئے تھے۔

تاہم اُس وقت ڈینگی کے نتیجے میں 370 افراد جان کی بازی ہار گئے تھے، یہ تعداد رواں برس ہونے والی 79 اموات سے 4 گنا زیادہ تھیں۔

ڈینگی کے کیسز میں اضافے کی بڑی وجوہات بتاتے ہوئے وزارت صحت کے ترجمان ساجد شاہ نے بتایا کہ ‘رواں برس دنیا بھر میں ڈینگی کے کیسز کی غیر معمولی تعداد رپورٹ ہوئی ہے’۔

انہوں نے کہا کہ ‘ملک بھر میں ڈینگی کے کیسز ریکارڈ کرنے کے طریقہ کار میں بہتری آئی ہے’۔

بات کو جاری رکھتے ہوئے انہوں نے دعویٰ کیا کہ دنیا بھر میں ڈینگی کی غیر معمولی تعداد کے مقابلے میں پاکستان کی کارکردگی دیگر ممالک سے بہتر ہے۔

دوسری جانب ڈان کے پاس موجود دستاویز کے مطابق رواں سال کے دوران ملک بھر میں ڈینگی کے 49 ہزار 5 سو 87 کیسز کی تصدیق ہوئی، جس میں سب سے زیادہ 13 ہزار ایک سو 79 کیسز وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں رپورٹ ہوئے۔

سندھ میں ڈینگی کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد 13 ہزار 2 سو 51، پنجاب میں 9 ہزار 8 سو 55، خیبرپختونخوا میں 7 ہزار 7 سو 76 اور بلوچستان میں 3 ہزار 2 سو 17ہے۔

علاوہ آزاد کشمیر سے ایک ہزار 6 سو 90 کیسز رپورٹ ہوئے جبکہ 6 سو 25 کیسز کو ‘دیگر’ کیٹیگری میں رکھا گیا ہے۔

‘دیگر’ کیٹیگری ان کیسز کی نشاندہی کرتی ہے جن کا اصل مقام معلوم نہیں ہوسکا۔

اسی طرح ڈینگی سے خیبرپختونخوا اور گلگت بلتستان میں کوئی اموات رپورٹ نہیں ہوئیں جبکہ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں 22 افراد جاں بحق ہوئے۔

علاوہ ازیں ڈینگی سے سب سے زیادہ اموات سندھ میں ہوئیں جن کی تعداد 33 ہے، اس کے بعد پنجاب میں 22, بلوچستان میں 3 جبکہ آزاد کشمیر میں ڈینگی کے باعث ایک شخص جاں بحق ہوا۔

بالی ووڈ اداکارہ روینا ٹنڈن پاکستانی ہیرو کی تعریف کیے بغیر رہ نہ سکیں

بالی وڈ کی اداکارہ روینا ٹنڈن بھارت سے اومان جانے والی پرواز کو حادثے سے بچانے والے پاکستانی ہیرو کے اقدام کو سراہے بغیر رہ نہ سکیں۔

اداکارہ نے مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پر اس حوالے سے ایک ٹوئٹ بھی کیا۔

بالی ووڈ اداکارہ روینا ٹنڈن نے اپنے ٹوئٹ میں لکھا کہ ’جب انسانیت سیاست سے جیت جائے‘

Raveena Tandon

@TandonRaveena

When humanity wins over politics . Pakistani air traffic controller saves a Jaipur to Muscat flight from disaster https://www.livemint.com/news/world/pakistani-air-traffic-controller-saves-a-jaipur-to-muscat-flight-from-disaster-11573872117945.html 

Pakistani air traffic controller saves a Jaipur to Muscat flight from disaster

Sources in the aviation authority said that the aircraft had encountered abnormal weather conditions near the Chor area of the southern province of Sindh.Islamabad has, for more than a month,…

livemint.com

5,237 people are talking about this

روینا ٹنڈن نے اپنے ٹوئٹ میں وضاحت کرتے ہوئے لکھا کہ ’پاکستانی ائیر ٹریفک کنٹرولر نے جےپور سے مسقط جانے والی پرواز کو تباہ ہونے سے بچا لیا‘

واضح رہے کہ چند روز قبل پاکستان سول ایویشن اتھارٹی کے ایک ائیر ٹریفک کنٹرولر نے بھارت سے اومان جانے والے ایک طیارے کو حادثے سے بچا لیا تھا۔

بھارت کے شہر جے پور سے مسقط جانے والے مسافر طیارے میں 150 مسافر سوار تھے اور طیارہ کراچی ریجن کے اوپر سے گزر تے وقت خراب موسم میں پھنس گیا تھا۔ آسمانی بجلی گرنے کی وجہ سے جہاز 36 ہزار فٹ کی بلندی سے یکدم 34 ہزار کی بلندی پر آگیا اور اس دوران پائلٹ نے ایمرجنسی پروٹوکول کے تحت قریبی اسٹیشنز کو”مئےڈے” پیغام بھیج دیا۔

اس موقع پر پاکستان میں ہوا بازی کے نگران سرکاری ادارے سی اے اے کے ائیر ٹریفک کنٹرولر نے فوری طور پر مذکورہ پیغام کا جواب دیا اور جہاز کے کپتان کو پاکستانی فضاء میں موجود شدید فضائی ٹریفک سے نکلنے میں مدد فراہم کی۔

سی اے اے ذرائع کے مطابق جے پور سے مسقط جانے والے جہاز کو شدید خراب موسم کا سامنا سندھ کے علاقے چھور میں کرنا پڑا تھا۔

ہواوے کو ایک بار پھر امریکی عارضی ریلیف ملنے کا امکان

امریکا کی جانب سے پابندیوں کا سامنا کرنے والی چینی کمپنی ہواوے کو امریکی محکمہ تجارت کی جانب سے تیسری بار عارضی جنرل لائسنس دیئے جانے کا امکان ہے۔

رواں سال مئی میں ہواوے پر تجارتی پابندیوں کا نفاذ ہوا تھا مگر امریکی محکمہ تجارت کی جانب سے اس موقع پر چینی کمپنی کو پابندیوں سے 3 ماہ کا استثنیٰ عارضی لائسنس کے اجرا کے ذریعے دیا گیا، تاکہ وہ امریکی کمپنیوں سے کاروبار جاری رکھ سکے۔

امریکی بلیک لسٹ میں شامل کمپنی کے امریکی کمپنیوں سے کاروبار کے حوالے سے عارضی لائسنس کی مدت 19 اگست کو ختم ہونے پر مزید 3 ماہ کے لیے عارضی لائسنس جاری کیا گیا۔

خبررساں ادارے رائٹرز کے مطابق اب یہ مدت 19 نومبر کو ختم ہورہی ہے اور اس سے قبل ایک بار پھر 3 ماہ کا استثنیٰ دیئے جانے کا امکان ہے۔

مئی میں ہواوے کو بلیک لسٹ کرنے کے بعد امریکی کمپنیوں کو چینی کمپنی کے ساتھ کام کرنے کے لیے حکومتی لائسنس کی ضرورت ہوتی ہے۔

رائٹرز نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ امریکی محکمہ تجارت کی جانب سے مزید 90 دن کے لیے عارضی لائسنس جاری کیا جائے گا جس کی بدولت ہواوے ٹیلی کام نیٹ ورکس کے ساتھ کام کرسکے گی جبکہ اس کے فونز کو سافٹ وئیر اپ ڈیٹس بھی ملتی جائیں گی۔

گزشتہ ہفتے امریکا کے کامرس سیکرٹری ولبر روس نے ایک انٹرویو کے دوران اعتراف کیا تھا کہ کچھ دیہی امریکی آپریٹرز تھری جی اور فور جی نیٹ ورکس چلانے کے لیے ہواوے پر منحصر ہیں۔

تاہم ان کا کہنا تھا کہ امریکا ہواوے کی جانب سے فائیو جی نیٹ ورکنگ آلات کی سپلائی کے حوالے سے اعتماد کرنے کے لیے تیار نہیں۔

مئی میں عارضی لائسنس کے اجرا کے موقع پر امریکی سیکرٹری آف کامرس نے اپنے بیان میں کہا تھا ‘ یہ عارضی لائسنس آپریٹرز کو متبادل انتظامات کے لیے وقت فراہم کرتا ہے جبکہ محکمے کو اس دوران یہ تعین کرنے کا موقع مل سکے گا کہ وہ طویل المعیاد بنیادوں پر امریکی اور غیر ملکی ٹیلی کمیونیکشن کمپنیاں جو اس وقت ہواوے کے آلات پر انحصار کررہے ہیں، کے لیے انتظامات کرسکے’۔

بیان میں کہا گیا کہ یہ لائسنس آپریٹز کو ہواوے موبائل فونزاور براڈ بینڈ نیٹ ورکس پر آپریشنز جاری رکھنے کی سہولت فراہم کرے گا’۔

عارضی لائسنس کے باوجود ہواوے کے لیے امریکی پابندیاں مختلف مسائل کا باعث بن رہی ہیں کیونکہ متعدد بڑی ٹیکنالوجی کمپنیوں نے چینی کمپنی سے اپنے تعلقات ختم کرلیے ہیں، جس سے اہم سافٹ وئیر اور پرزہ جات تک اس کی رسائی محدود ہوئی ہے۔

اسی طرح کمپنی کے نئے فونز گوگل ایپس اور سروسز سے محروم ہوچکے ہیں، جس سے یورپ سمیت مختلف مارکیٹوں میں کمپنی کا بزنس متاثر ہونے کا بھی امکان ہے۔

اعصام الحق کا ڈیوس کپ مقابلے پاکستان سے باہر منتقل کرنے پر ایونٹ کا بائیکاٹ

لاہور: ٹینس اسٹار اعصام الحق نے بھارتی اثرورسوخ پر انٹرنیشنل ٹینس فیڈریشن کی طرف سے  ڈیوس کپ مقابلے پاکستان سے باہر منتقل کرنے پر ایونٹ کا بائیکاٹ کردیا۔

پاکستان ٹینس فیڈریشن کے صدر سلیم سیف اللہ کے نام احتجاجی خط میں ستارہ امتیاز پانے والے اعصام الحق کا کہنا ہے کہ پاکستان میں سکیورٹی کو جواز بناکر ڈیوس کپ ٹائی کو کسی دوسرے ملک میں منتقل کرنا قابل افسوس ہے۔ پاکستان میں ہزار بھارتی کرتار پور راہداری اور دوسرے مختلف مقامات پر آزادانہ گھوم پھر رہے ہیں، کسی بھارتی کو سیکیورٹی کے حوالے سے کوئی مسئلہ نہیں۔

اعصام الحق نے کہا کہ سری لنکا کی کرکٹ ٹیم لاہور میں کھیل چکی ہے، بنگلا دیش کی ٹیمیں مختلف شہروں میں کھیل چکی ہیں، برطانوی شاہی جوڑا اسلام آباد اور لاہور کی سیر کرچکا ہے، ہالینڈ کی وزیر اعظم پاکستان آرہی ہیں، ایسے میں آل انڈیا ٹینس ایسوسی ایشن کے کہنے پر مقابلے بیرون ملک منتقل کردینا پاکستانی عوام سے زیادتی ہے۔

ٹینس اسٹار نے خط میں کہا کہ اگر ڈیوس کپ ٹینس ٹائی نیوٹرل مقام پر کرانے کا فیصلہ واپس نہ لیا گیا تو اس ایونٹ میں شرکت نہیں کروں گا، ہمیشہ پاکستان کی عزت اور نیک نامی کے لیے کھیلا ہوں اس لیے انٹرنیشنل ٹینس فیڈریشن کے اس دہرے معیار اور بھارتی دوستی رویے پر آواز بلند کررہا ہوں۔

واضح رہے کہ ڈیوس کپ مقابلے 29 نومبر سے اسلام آباد میں ہونا تھے جس میں بھارتی ٹیم کو یہاں آکر کھیلنا تھا تاہم آل انڈیا ٹینس ایسوسی ایشن کے دباؤ پر اسے اب نیوٹرل ملک میں کرانے کا اعلان کیا گیا ہے۔

فیس بک میں انسٹاگرام جیسے ‘پاپولر فوٹوز’ فیچر کی آزمائش

جب آپ فیس بک ایپ پر فل اسکرین موڈ پر ایک ویڈیو دیکھتے ہیں اور اسکرول ڈاﺅن کرتے ہیں تو آپ کے سامنے سوشل میڈیا نیٹ ورک کی جانب سے مختلف ویڈیوز کے آپشن دیئے جاتے ہیں اور اب یہی فیچر تصاویر کے لیے بھی متعارف ہونے والا ہے۔

فیس بک میں ایک نئے فیچر پر کام ہورہا ہے جسے پاپولر فوٹوز کا نام دیا گیا ہے اور انسٹاگرام فیڈ سے ملتا جلتا ہے۔

اس وقت اگر آپ فیس بک ایپ پر تصویر پر کلک کرتے ہیں تو فل اسکرین موڈ میں داخل ہوجاتے ہیں جس پر سیاہ پس منظر ہوتا ہے اور جب آپ اسکرول ڈاﺅن یا سوائپ کرتے ہیں، تو واپس چلے جاتے ہیں۔

مگر پاپولر فوٹوز فیچر میں صارفین کے سامنے دوستوں اور دیگر پبلک پوسٹس کی دیگر تصاویر آجاتی ہیں جو بالکل انسٹاگرام فیڈ جیسا تجربہ فراہم کرتا ہے۔

فوٹو بشکریہ ٹیک کرنچ
فوٹو بشکریہ ٹیک کرنچ

ٹیک کرنچ کی رپورٹ کے مطابق فیس بک کے ایک ترجمان نے پاپولر فوٹوز کی اکتوبر میں آزمائش کی تصدیق کی، تاہم مزید تفصیلات یا اس کے مقصد کے بارے میں بتانے سے انکار کیا۔

فیس بک میں پہلے ہی اسٹوریز، میسجنگ، پروفائلز اور واچ ویڈیو ہب جیسے انسٹاگرام فیچرز موجود ہیں مگر اس فیچر کی بدولت یہ مکمل طور پر انسٹاگرام کلون کی شکل اختیار کرلے گی۔

فوٹو بشکریہ ٹیک کرنچ
فوٹو بشکریہ ٹیک کرنچ

اس فیچر کی بدولت صارفین کو نیوزفیڈ پر اسٹیٹس اپ ڈیٹس اور دیگر مواد دیکھنے کی ضرورت نہیں ہوگی بلکہ وہ بس ایک تصویر پر کلک کرکے دیگر تصاویر کو دیکھتے ہوئے وقت گزار سکیں گے۔

اس فیچر میں نیوز فیڈ یا کسی پروفائل پر تصویر پر جب صارفین کی جانب سے کلک کیا جائے گا تو اسکرول کرنے پر پاپولر فوٹوز ٹائٹل سے نیچے جانے پر اضافی تصاویر نظر آئیں گی اور سی مور فوٹوز لیبل مزید تصاویر کو دکھائے گا۔

پاپولر فوٹوز میں کیپشن 65 حروف پر مشتمل ہوگا جبکہ سیاہ پس منظر سنیما جیسا احساس دلائے گا۔

ٹیسٹ رینکنگ، عباس اور بابراعظم کے پاؤں پھسل گئے

دبئی:   ٹیسٹ رینکنگ میں بھارتی کرکٹرزترقی سے محمد عباس اور بابراعظم کے پاؤں پھسل گئے۔

محمد شمی کی 8 درجے چھلانگ نے پاکستانی فاسٹ بولر کو 12 ویں نمبر پر پہنچادیا، بابر کو میانک اگروال کی ترقی کے باعث ایک درجہ نیچے 15 ویں نمبر پر جانا پڑا، پہلے ٹیسٹ میں شکست سے دوچار  ہونے والے بنگلہ دیشی کھلاڑیوں کو بھی تنزلی کا سامنا کرنا پڑا۔ تفصیلات کے مطابق بھارتی فاسٹ بولر محمد شمی نے بنگلہ دیش کے خلاف اندور میں کھیلے گئے پہلے ٹیسٹ کی پہلی اننگز میں 3 جبکہ دوسری باری میں 31 رنز کے عوض 4 وکٹیں لیں جس کی بدولت انھیں ٹیسٹ بولرز رینکنگ میں ایک ساتھ 8 درجے ترقی حاصل ہوئی۔

جس سے وہ ساتویں نمبر پر پہنچ گئے، ان کو جگہ دینے کیلیے کچھ بولرز کو ایک ایک قدم پیچھے ہٹنا پڑا جن میں پاکستانی پیسر محمد عباس بھی شامل ہیں جوکہ اب بارہویں نمبر پر پہنچ گئے ہیں، ٹاپ 20 میں شامل دوسرے پاکستانی بولر یاسر شاہ بدستور 17 ویں نمبر پر پہنچ گئے ہیں، ٹاپ پوزیشن پر بدستور آسٹریلیا کے پیٹ کمنز قابض ہیں، کاگیسو  ربادا کا دوسرا نمبر ہے۔

اسی طرح اندور ٹیسٹ میں 243 رنز کی اننگز کھیلنے والے بھارتی اوپنر میانک اگروال کو 7 درجے ترقی نے گیارہویں نمبر پر پہنچادیا، اسی وجہ سے باقی کچھ بیٹسمینوں کی طرح بابر اعظم کو بھی ایک قدم پیچھے ہٹنا پڑا، جس سے وہ اب 15 ویں نمبر پر پہنچ گئے ہیں، اسد شفیق بدستور 20 ویں اور اظہر علی 22 ویں نمبر پر موجود ہیں۔

ٹیم سے باہر سرفراز احمد کا 38 واں نمبر ہے۔ بنگلہ دیشی بیٹسمین محمود اللہ کی تنزلی کے باعث حارث سہیل ترقی پاکر 44 ویں نمبر پر پہنچ گئے ہیں۔ ٹاپ بیٹنگ پوزیشن آسٹریلیا کے سابق کپتان اسٹیون اسمتھ کے پاس ہے جبکہ بھارتی قائد ویرات کوہلی دوسرے نمبر پر موجود ہیں۔ ٹیسٹ آل راؤنڈرز میں ٹاپ پر ویسٹ انڈین کپتان جیسن ہولڈر موجود ہیں، دوسرے نمبر پر رویندرا جڈیجا اور تیسرا نمبر انگلینڈ کے بین اسٹوکس نے سنبھالا ہوا ہے۔

امراض قلب کے لیے ادویات اسٹنٹس اور بائی پاس جتنی موثر، تحقیق

امراض قلب کے شکار افراد میں ہارٹ اٹیک اور موت سے بچانے کے لیے خطرناک سرجریز جیسے بائی پاس ادویات اور طرز زندگی میں بہتری سے زیادہ بہتر نہیں ہوسکتی۔

یہ بات امریکا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آئی۔

بند ہوجانے والی شریانوں کو کھولنے کے لیے طبی سرجری جو کہ بیشتر کیسز میں اسٹنٹ ڈالنا ہوتا ہے، جسے مریضوں میں سینے کی درد میں کمی لانے کے لیے ادویات سے زیادہ بہتر سمجھا جاتا ہے، مگر اس نئی تحقیق مین دریافت کیا گیا کہ اس سے امراض قلب کے نتیجے میں سامنے آنے والے واقعات جیسے ہارٹ اٹیک، ہسپتال میں پہنچ جانا اور موت وغیرہ پر کوئی اضافہ اثر مرتب نہیں ہوتا۔

تحقیق میں بتایا گیا کہ اسٹنٹس اور بائی پاس سرجری کا فیصلہ مریضوں میں جلد بازی کی بجائے احتیاط سے کرنا چاہیے۔

10 کروڑ ڈالرز سے کی جانے والی تحقیق کے نتائج امریکن ہارٹ ایسوسی ایشن کے سالانہ اجلاس کے دوران پیش کیے گئے اور یہ بند شریانوں کے علاج کے حوالے سے بحث میں ایک نیا اضافہ ہے۔

12 سال قبل ایک ایسی ہی تحقیق میں اس طرح کے طبی طریقہ علاج کو اپنانے والے ڈاکٹروں اور ماہرین کو تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

واشنگٹن پوسٹ سے بات کرتے ہوئے کارڈیالوجسٹ ایلیٹ انٹمین (اس تحقیق کا حصہ نہیں تھے) نے کہا ‘یہ ایک تاریخ ساز تحقیق ہے جس کے بارے میں لوگ برسوں سے بات کررہے تھے، نتائج سے ثابت ہوتا ہے کہ ابتدائی مراحل میں سرجریز کو اپنانا مریضوں میں ہارٹ اٹیک کا امکان کم کرتا، بس یہ سینے میں درد میں کمی لاتا ہے’۔

ادویات استعمال کرنے والے مریضوں میں بھی بند شریانوں سے ہارٹ اٹیک کا امکان اتنا ہی ہوتا ہے جتنا سرجری کرانے والے افراد میں، اور یہ دریافت دہائیوں سے موجود عام طبی علم کو چیلنج کرتی ہے۔

اس تحقیق میں 5 ہزار سے زائد افراد کا جائزہ لینے کے بعد بتایا گیا کہ بائی پاس اور اسٹنٹ سے جو سب سے بڑا فائدہ ہوتا ہے ہو سینے میں درد یا انجائنا کے شکار افراد کو مدد ملنا ہے۔

نیویارک ٹائمز سے بات کرتے ہوئے بوسٹن یونیورسٹی کی ماہر ڈاکٹر ایلس جیکبس نے کہا کہ آپ سوچتے ہیں کہ اس سرجری سے مریض بہتر محسوس کرنے لگے گا یا اس کی حالت بہتر ہوگی، مگر یہ نتائج ہمارے طبی طرز فکر کو چیلنج کرے گی۔

ایک اور ڈاکٹر نے نیویارک ٹائمز کو بتایا کہ مریض سرجری پر ادویات کو ترجیح دے کر ہر سال 77 کروڑ ڈالرز بچاسکتے ہیں۔

اسٹنٹس اور شریانوں کی صفائی کرنے والی دیگر ڈیوائسز کے حوالے سے برسوں سے اعتراض سامنے آرہے ہیں، مگر یہ تحقیق جسے Ischemia کا نام دیا گیا، میں زیادہ گہرائی میں جاکر اس کے اثرات کا جائزہ لیا گیا۔

بیلور کالج آف میڈیسین کے کارڈک کییئر کے ڈائریکٹر اور امریکن ہارٹ ایسوسی ایشن کی گائیڈلائن کمیٹی میں شامل ڈاکٹر گلین لیونی کے مطابق یہ انتہائی اہمیت کی حامل تحقیق ہے، جس کے نتائج کو علاج کی گائیڈلائنز میں شامل کیا جانا چاہیے۔

Google Analytics Alternative