انٹر ٹینمنٹ

انگلی کی جنبش سے آدھی مخلوق ختم کرتے ’تھونس’ کے چرچے

مارول کومک اور ڈزنی اسٹوڈیو کی سب سے مہنگی ترین فلم ’اوینجرز اینڈ گیم’ نے ریلیز ہوتے ہی دنیا بھر میں تہلکہ مچادیا۔

’اوینجرز اینڈ گیم’ کو ابتدائی طور پر چین اور بعد ازاں امریکا سمیت دیگر ممالک میں ریلیز کیا گیا۔

’اوینجرز اینڈ گیم‘ کو انٹرنیشنل سطح پر 26 اپریل کو ریلیز کیا گیا اور فلم نے ریلیز ہوتے ہی نئے ریکارڈ اپنے نام کرنے سمیت باقی فلموں کو بھی پیچھے چھوڑ دیا۔

یہ خیال پہلے ہی کیا جا رہا تھا کہ ’اوینجرز اینڈ گیم‘ کئی ریکارڈ بنانے میں کامیاب جائے گی اور کئی فلمی تجزیہ نگاروں کی قیاس آرائیاں صحیح ثابت ہوئیں۔

اس فلم کو ’اوینجرز‘ سیریز کی باقی تین فلموں سمیت ڈزنی اسٹوڈیو کی سائنس فکشن سپر ہیرو فلموں کا مجموعہ بھی قرار دیا جا رہا ہے۔

فلم میں اوینجرز کی باقی فلموں کی طرح ولن تھونس کو پہلے سے زیادہ طاقتور اور خطرناک دکھایا گیا ہے جو اپنی انگلی کی محض ایک جنبش سے آدھی مخلوق ختم کرتے دکھائی دیتے ہیں۔

طاقتور ترین تھونس کا مقابلہ کرنے کے لیے اس بار بھی کیپٹن امریکا، کیپٹن مارول، آئرن مین، بلیک وڈو، اسپائیڈر مین، تھور، آنٹ مین اور دیگر ہیروز ایکشن میں دکھائی دیتے ہیں۔

یہ کردار ڈزنی اسٹوڈیو کے معروف ترین کردار ہیں جن کی فلمیں نہ صرف اپنی مثال آپ ہوتی ہیں بلکہ یہ کمائی کے بھی نئے ریکارڈ بناتی ہیں، تاہم ’اوینجرز‘ میں یہ سب ہیروز مل کر ایک ولن کا مقابلہ کرتے ہیں۔

ڈزنی اسٹوڈیو کا ولن ’تھونس’ ایک ایسا ولن ہے جس کے آگے بعض مرتبہ آئرن مین، آنٹ میں، کیپٹن امریکا اور تھور جیسے طاقتور ہیروز بھی بے بس دکھائی دیتے ہیں۔

’اوینجرز اینڈ گیم’ کی ریلیز سے قبل ہی متعدد شوبز ویب سائٹس نے اسے اب تک مہنگی اور اچھی کمائی کرنے والی فلم قرار دیا تھا۔

بعض ویب سائٹس نے ’اوینجرز اینڈ گیم‘ کو 10 تک اسٹارز بھی دیے تھے، وہیں اس نے کمائی میں بھی نئے ریکارڈ بنا ڈالے۔

شوبز ویب سائٹ ’ڈیڈ لائن’ کے مطابق ’اونجرز اینڈ گیم‘ نے ریلیز کے پہلے ہی دن 15 کروڑ 70 لاکھ ڈالر کی کمائی کرکے سب کو پیچھے چھوڑ دیا۔

’اوینجرز اینڈ گیم‘ نے ریلیز کے ابتدائی تین دن میں امریکا بھر سے 39 کروڑ 20 لاکھ ڈالرز کمائے جو پاکستانی 55 ارب 74 کروڑ روپے سے زائد بنتے ہیں۔

ریلیز کے پہلے اور ابتدائی تین میں ریکارڈ کمائی کرنے کے بعد ’اوینجرز اینڈ گیم‘ نے ’اسٹار وارز‘ اور ’انفینٹی وار‘ کو بھی پیچھے چھوڑ دیا۔

ورون نے نتاشا سے منگنی کی تاریخ آگے بڑھادی

بالی وڈ اداکار ورون دھون اور ان کی گرل فرینڈ نتاشا دلال کی محبت کے چرچے طویل عرصے سے زبان زد عام ہیں اور دونوں کی رواں ماہ منگنی کی خبریں بھی زیرِ گردش تھیں تاہم اب ان کی منگی تاخیر کا شکار ہوگئی ہے۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق 24 اپریل کو ورون دھون کی سالگرہ کے موقع پر نتاشا دلال کو دھون خاندان کی مستقبل کی بہو بنانے کا اعلان متوقع تھا لیکن اداکار بھارت میں سالگرہ منانے کے بجائے نتاشا دلال کے ساتھ اچانک دوسرے ملک  سالگرہ منانے چلے گئے۔

رپورٹ کے مطابق ورون دھون  اس وقت فلم ’قلی نمبر1‘ کی شوٹنگ کے شیڈول میں مصروف ہیں جس کے باعث منگنی اور شادی کے کاموں کو نہیں سنبھال سکیں گے یہی وجہ ہے کہ انہوں نے اپنی منگنی کو آگے بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے۔

واضح رہے کہ رواں ماہ ورون دھون کی فلم ’کلنک‘ سینما گھروں کی زینت بنی تھی جو فلم بینوں کو متاثر کرنے میں ناکام رہی، اب اداکار 1995 کی مقبول فلم ’قلی نمبر 1‘ ری میک کی عکس بندی میں مصروف ہیں جو ان کے والد ڈیوڈ دھون کی ہدایت کاری میں بنائی جا رہی ہے۔

’قلی نمبر 1‘ میں ورون دھون پہلی مرتبہ اداکارہ سارہ علی خان کے ساتھ جلوہ گر ہوں گے۔

میشاشفیع کے الزامات سے مجھے ذہنی، نفسیاتی اور مالی نقصان پہنچا، علی ظفر

لاہور: نامور پاکستانی گلوکار و اداکار علی ظفر نے کہا ہے کہ میشا شفیع کے الزامات کی وجہ سے مجھے اور میرے خاندان کو ذہنی، نفسیاتی اور مالی طور پر نقصان پہنچا لہٰذا عدالت سے استدعا ہے کہ اس کیس کا فیصلہ جلد سے جلد سنایاجائے۔

گلوکار علی ظفر نے لاہور کی سیشن عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ظلم کرنے سے زیادہ ظلم سہنا زیادہ بڑاگناہ ہے مجھے عدالت نے بلایا نہیں تھا میں خود عدالت آیا ہوں۔ جس کو بلایا جا رہا ہے، وہ عدالت نہیں آ رہی اور جس کو نہیں بلایا جا رہا، وہ خود عدالت آرہا ہے۔ جو حق سچ پر ہوتا ہے، وہ بن بلائے عدالت میں آتا ہے جھوٹا عدالتوں کے بلانے پر بھی عدالتوں میں نہیں آتا مجھ پر جھوٹا الزام لگایا گیا ہے۔

علی ظفر نے کہا سوشل میڈیا پر جعلی اکاؤنٹس بنا کر میرے خلاف پراپیگنڈہ کیا جا رہا ہے۔ اپنے ذاتی مفاد کے لئے شریف بندے پر الزام لگایا گیا ہے، ہم نے اس کے خلاف ایف آئی اے سے بھی رجوع کیا ہے کیونکہ یہ سائبر بلنگ اور سائبر کرائم کے زمرے میں آتاہے۔

علی ظفر نے کہا میں یہ دیکھ کر حیران رہ گیاہوں، میری آنکھیں کھل گئی ہیں کہ کس طرح چیزیں ہورہی ہیں، کوئی بھی  ایک بے گناہ اور شریف آدمی کو جس نے20 سال لگا کر عوام کو تفریح فراہم کی، اپنے فن کے ذریعے لوگوں میں پیار بانٹا اور عزت کمائی، کیا کل کو کوئی بھی اٹھ کے اپنے ذاتی مفاد کے لیے ٹوئٹر اور سوشل میڈیا پراس شخص پرالزامات لگائے اور خود امیگریشن کے لئے درخواست دے کر بیرون ملک چلا جائے کیا اس کی اجازت دی جانی چاہئے۔

علی ظفر نے کہا جس خاتون نے مجھ پر الزامات لگائے اس کے پیچھے ان کی نیت کیا تھی یہ تو اللہ بہتر جانتا ہےلیکن جو حقائق سامنے آئے ہیں اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ یہ سب کچھ مکمل منصوبہ بندی کے تحت مجھے ٹارگٹ کرکے اور اپنے ذاتی مفاد کے لیے کیاگیا، اس کے ساتھ ہی علی ظفر نے سوال اٹھاتے ہوئے کہا کیا یہ سب اسلیے کیاگیا کہ میشا کینیڈا منتقل ہو کرعالمی سطح پر اپنی پہچان بنا کر ملالہ بننا چاہتی تھیں؟ اس کے پیچھے ان کا کیا مقصد تھا مجھے اس بارے میں نہیں پتہ۔

گلوکار علی ظفر نے مزید کہا میشا شفیع کا اصل کیس مسترد ہو چکا ہے، اس کی اپیل بھی مسترد ہو چکی ہے تو قانون کی نظر میں میں بے گناہ ہوں، یہ اب ہتک عزت کا کیس ہے جس کا میں نے دعویٰ دائر کر رکھا ہے۔ میشا شفیع کے ان الزامات کی وجہ سے مجھے اور میرے خاندان کو ذہنی، نفسیاتی اور مالی طور پر نقصان پہنچا لہٰذا اب وہ میرے نقصان کا ازالہ کریں۔

گلوکار نے کہا ایک سال سے کیس چل رہا ہے، ہمارے گواہان 8 بار عدالتوں میں آکر واپس جا چکے ہیں۔ جان بوجھ کر کیس میں تاخیر کی جارہی ہے، لہذٰا میری عدالتوں سے استدعا ہے کہ اس کیس کا فیصلہ جلد از جلد سنایا جائے تاکہ  میرا سچ اور خاتون کا جھوٹ سامنے آئے اور میں میشا شفیع اور ان کے وکلا سے گزارش کرتا ہوں کہ عدالت آکر کیس کا سامنا کریں۔

واضح رہے کہ گزشتہ برس میشا شفیع نے علی ظفر پر جنسی ہراسانی کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا تھا کہ علی ظفر نے انہیں ایک بار نہیں کئی بار ہراساں کیا ہے جس کے جواب میں علی ظفر نے میشا شفیع پر ہتک عزت کا دعویٰ دائر کرتے ہوئے انہیں ایک ارب ہرجانے کا نوٹس بھجوایاتھا۔

ایوینجرز اینڈ گیم کے بارے میں ناقدین نے کیا لکھا؟

 ایوینجرز اینڈگیم دنیا بھر میں ریلیز ہوگئی ہے اور کروڑوں افراد اسے دیکھنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

مارول یونیورس کے تیسرے مرحلے کا اختتام اس فلم کے ساتھ ہوگیا ہے اور گزشتہ سال کی انفٹنی وار کے بعد لوگوں کو اس سے بہت زیادہ توقعات بھی وابستہ ہیں۔

سب یہ جاننے کے لیے بے تاب ہیں کہ انفٹنی وار میں ولن کے ہاتھوں مٹی بن جانے والے ہیروز کی واپسی کیسے ہوگی۔

اور یہ مارول سپرہیروز کی سب سے طویل فلم بھی ہے جس کا دورانیہ 3 گھنٹے ہے۔

اگر آپ بھی اس فلم کو دیکھنے کا ارادہ رکھتے ہیں تو جان لیں کہ ناقدین اس کے بارے میں کیا رائے رکھتے ہیں۔

اس ویک اینڈ اگر فلم کو دیکھنے کا ارادہ ہے تو یہ بھی ضرور جان لیں کہ پیسے خرچ کرنا چاہئے یا نہیں۔

ورائٹی

اس ویب سائٹ نے لکھا ہے کہ ایوینجرز اینڈگیم اب تک کی سب سے مہنگی فلم ہے اور ہاں یہ لوگوں کو اپنے پسندیدہ کرداروں کے بارے میں جذباتی وابستگی بھی فراہم کرتی ہے، بلکہ یہ کہنا درست ہوگا اس فلم میں ساری توجہ دنیا کو بچانے پر مرکوز کی گئی ہے اور ہیروازم کے لیے انسانی قیمت چکانا پڑتی ہے جس کے اعث ذاتی قربانیاں دیکھنے میں آئیں۔

ہولی وڈ رپورٹر

اس ویب سائٹ نے لکھا کہ تین گھنٹے طویل فلم بہترین کہانی کا اختتام ہے جس میں کائنات کی بقا داﺅ پر لگی ہوئی ہے، آئرن مین کا کردار ادا کرنے والے رابرٹ ڈاﺅنی جونیئر ابھر کر سامنے آتے ہیں اور یاد دلاتے ہیں کہ وہ کتنے اچھے اداکار ہیں۔

دی گارڈین

اس برطانوی روزنامے نے فلم کو 5 میں سے 5 اسٹارز دیتے ہوئے لکھا ہے کہ یہ ایک جوش بھردینے والا اختتام ہے جو اختتام میں دیکھنے والوں کو جذبات سے بھر دیتا ہے اور ہمیں اپنے پسندیدہ اداکاروں کو الوداع کہنے کا موقع فراہم کرتا ہے۔

ایمپائر

اس ویب سائٹ نے بھی اس فلم کو 5 اسٹارز دیتے ہوئے لکھا کہ یہ ایک فاتحانہ اختتام ہے جس میں جذبات پر زور دینے کے ساتھ ایکشن پر بھی بھرپور توجہ دی گئی ہے، یہ دیکھنے والوں کی تسلی کرتی ہے۔

سی این این

اس امریکی ویب سائٹ نے لکھا کہ اینڈ گیم مارول اور ڈزنی کے لیے نت نئے باکس آفس ریکارڈز بنائے گی اور یہ مارول کا کریڈٹ ہے کہ اس نے اس فلم کو دیکھنے والوں کے لیے ہر پہلو سے مثالی بنانے کی کوشش کی ہے، کیونکہ اسٹوڈیو اپنے تمام وسائل کو ناظرین کو فراہم کرنے کے لیے تیار ہوگیا تاکہ ان کے ٹکٹ کا خرچہ ضائع نہ ہو۔

میش ایبل

اس ویب سائٹ نے لکھا کہ 10 سال سے زیادہ اور 20 سے زائد فلموں کے ذریعے مارول نے وہ کام کردکھایا جو کوئی اور فلم فرنچائز نہیں کرسکی، یہ اس سیریز کے عہد کا اطمینان بخش اختتام ہے۔

دی اٹلانٹک

اس سائٹ نے لکھا کہ انفٹنی وار کا ڈرامائی اختتام اس فلم کے لیے موثر ثابت ہوا، ایوینجرز کا تصور تو ممکنہ طور پر کہیں نہیں جارہا مگر اینڈگیم دیکھ کر اچھے الوداع کا احساس ضرور ہوتا ہے۔

دی Wrap

اس ویب سائٹ نے لکھا کہ ہاں کچھ لمحات ایسے ہیں جب اس فلم کی طوالت پریشان کرتی ہے اور ہاں مارول سینماٹک یونیورس کی کارپوریٹ پراڈکٹ ہے مگر پھر بھی اس کو دیکھتے ہوئے لگائے جانے والے قہقہے اور آنکھوں میں آنسو حقیقی لگتے ہیں۔ مارول فلمیں اس پر ختم نہیں ہورہیں مگر ایوینجرز اینڈ گیم اس سیریز کے اثر سے باہر نکلنے کا موقع فراہم کرتی ہے۔

انٹرٹینمنٹ ویکلی

اس ویب سائٹ نے لکھا کہ جب آدھی دنیا کی قسمت داﺅ پر لگی ہو تو متوقع عجلت نظر آتی ہے، مگر اس کے اندر ایک افسردگی بھی چھپی ہے، اس سب کے لیے نہیں جو کھو گیا بلکہ ان کے لیے جو اب واپس نہیں آئیں گے۔ گیارہ سال اور 22 فلموں کے بعد اینڈ گیم سے آخرکار ایک عہد کا اختتام ہوگیا۔

عمر شریف کی بیمار ہونے کی تردید، مزید اسٹیج ڈرامے کرنے کا اعلان

 کراچی: عالمی شہرت یافتہ اسٹیج اداکار عمر شریف نے طبیعت خرابی کی خبروں کو بے بنیاد قرار دیتے نئے اسٹیج شوز کرنے کا اعلان کردیا۔

عمر شریف نے فیس بک پر ویڈیو کے ذریعے طبیعت ناسازی کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ میرا ویڈیو بنانے کا مقصد مجھ سے منسوب جھوٹی خبر کو واضح کرنا ہے جس میں کسی نے سوشل میڈیا پر یہ پھیلا دیا کہ میں اسپتال میں زیرعلاج ہوں۔

عمر شریف نے کہا کہ یہ خبریں من گھڑت اور جھوٹ پر مبنی ہیں میں ہمیشہ ہی اپنے مداحوں سے دعاؤں کی اور خوشیوں کی اور محبتوں کی درخواست کرتا رہا ہوں لیکن اس وقت میں اللہ کے کرم سے بالکل ٹھیک ہوں بلکہ میں اڑان بھرنے کے لیے بھی تیار ہوں۔

معروف اسٹیج فنکار نے کہا کہ جھوٹی خبریں سننے کے بعد مجھے یہ خیال آیا کہ اب فوری طور پر مجھے آپ لوگوں کے سامنے تھیٹر کرنا چاہیے اس لیے میں عید الفطر سے آرٹ کونسل کراچی میں اسٹیج ڈرامہ کروں گا اس کے بعد حیدر آباد جاؤن گا اور وہاں سے واپس آکر امریکا جاؤں گا جہاں میں 18 سے 22 شہروں میں شو کروں گا۔

عمر شریف اپنے مداحوں سے گزارش کرتے ہوئے کہا کہ جس سفر پر اب ہم جارہے ہیں اللہ پاک اس میں ہمیں کامیابی عطا فرمائے تاکہ ہمارے ملک پاکستان کا نام روشن ہو۔

واضح رہے کہ اسٹیج کی دنیا کے بے تاج بادشاہ عمر شریف نے طبیعت کی ناسازی کی وجہ سے گزشتہ کئی سال سے اسٹیج ڈراموں سے دوری اختیار کر رکھی تھی تاہم اب وہ طویل عرصے بعد ایک بار پھر اپنی غیر معمولی صلاحیتیوں  کے جوہر دکھاتے نظر آئیں گے۔

پاکستانی اداکار آغاعلی کا بالی ووڈ فلم کی پیشکش پر ردعمل

کراچی: ڈراما سیریل ’انداز ستم‘ اور’ڈائجسٹ رائٹر‘ میں اداکاری کے جوہر دکھانے والے پاکستانی اداکار آغاعلی نے بالی ووڈ کی جانب سے فلم کی پیشکش ٹھکرادی ہے۔

آغا علی کا شمار پاکستان ٹی وی کے نامور اداکاروں میں ہوتا ہے آغاعلی نہ صرف باصلاحیت اداکار ہیں بلکہ بے حد پُرکشش بھی ہیں۔ حال ہی میں ایک انٹرویو کے دوران آغا علی نے انکشاف کیا کہ انہیں بھارتی پنجابی فلم میں کام کرنے کی پیشکش ہوئی تھی تاہم انہوں نے یہ کہہ کر پیشکش ٹھکرادی کہ وہ اپنے فلمی کیریئرکا آغاز بھارتی پنجابی فلم سے نہیں بلکہ پاکستانی فلم  میں کام کرکے کرناچاہتے ہیں ہاں پاکستانی فلم میں کام کرنے کے بعد وہ بالی ووڈ جانے کا سوچیں گے۔

واضح رہے کہ پاک بھارت کشیدگی کے باعث بھارتی حکومت نے  پاکستانی فنکاروں پر پابندی عائد کی ہوئی ہے۔

’مین ان بلیک: انٹرنیشنل‘ میں اداکاروں کے سحر انگیز مناظر

ہولی وڈ کی آنے والی سائنس فکشن کامیڈی ایکشن فلم ’مین ان بلیک: انٹرنیشنل‘ کا نیا ٹریلر جاری کردیا گیا، جس نے ریلیز ہوتے ہی دھوم مچادی۔

’مین ان بلیک: انٹرنیشنل’ سیریز کی چوتھی فلم ہے، جسے رواں برس جون میں ریلیز کیا جائے گا۔

’مین ان بلیک‘ سیریز کی چوتھی فلم میں کرس ہیمس ورتھ، ٹیسا تھومپسن، کمیل نانجیانی، ربیکا فرگوسن، ایما تھومپسن اور اسٹیفن سیمسن سمیت دیگر اداکار ایکشن میں دکھائی دیں گے۔

جاری کیے گئے ٹریلر سے فلم کی کہانی کو سمجھنا مشکل ہے، تاہم ٹریلر میں سحر انگیز مناظر دیکھ کر اندازا ہوتا ہے کہ فلم شائقین کی توجہ حاصل کرنے میں کامیاب جائے گی۔

ٹریلر سے اندازا ہوتا ہے کہ نہ صرف فلم میں بھرپور ایکشن دیکھنے کو ملے گا بلکہ اس میں شامل کامیڈی بھی شائقین کو خوب محظوظ کرے گی۔

ٹیسا تھومپسن اور کرس ہیمس ورتھ ایجنٹ کے روپ میں دکھائی دیں گے—اسکرین شاٹ
ٹیسا تھومپسن اور کرس ہیمس ورتھ ایجنٹ کے روپ میں دکھائی دیں گے—اسکرین شاٹ

فلم کی کہانی دراصل ہائی ٹیکنالوجی ہتھیاروں سے لیس کمپنی کے ایجنٹس اور زمین پر آنے والی ایک طاقتور قوت کے انجانی کے گروپس کے درمیان جاری جنگ کے گرد گھومتی ہے، تاہم فلم میں ایک ساتھ دیگر کہانیاں بھی دیکھنے کو ملیں گی۔

فلم میں کرس ہیمس ورتھ اور ٹیسا تھومپسن ہائی ٹیکنالوجی سے لیس ہتھیاروں والی ایجنسی سے منسلک ہونے کے بعد طاقتور قوت کے حامل انجانی مخلوق کے گروپ سے لڑتے دکھائی دیں گے۔

ٹریلر سے اندازا ہوتا ہے کہ فلم سحر انگیز مناظر سے بھرپور ہے—اسکرین شاٹ
ٹریلر سے اندازا ہوتا ہے کہ فلم سحر انگیز مناظر سے بھرپور ہے—اسکرین شاٹ

فلم کا پہلا ٹریلر گزشتہ برس دسمبر میں ریلیز کیا گیا تھا اور اب اس کا دوسرا ٹریلر ریلیز کرنے کے ساتھ ہی فلم کو نمائش کے لیے پیش کرنے کی تاریخ کا اعلان بھی کردیا گیا۔

پروڈیوسر والٹر ایف پارکس اور لاری مکنولڈ کی اس فلم کی ہدایات ایف گیری گرے نے دی ہیں جب کہ اس کی کہانی آرٹ مارکم اور میٹ ہالووے نے لکھی ہے۔

اس سیریز کی تیسری فلم ’مین ان بلیک تھری‘ 2012 میں ریلیز کی گئی جب کہ دوسری فلم 2002 اور پہلی فلم 1997 میں ریلیز کی گئی تھی۔

خیال کیا جا رہا ہے کہ پہلی تینوں فلموں کی طرح چوتھی فلم بھی اچھی کمائی کرنے میں کامیاب جائے گی۔

ایوارڈ تنازعے میں ایمان علی بھی کود پڑیں

کراچی: لکس اسٹائل ایوارڈ تنازع ہرگزرتے دن کے ساتھ شدت اختیار کرتا جارہاہے اور اب اس تنازعے میں نامور ماڈل واداکارہ ایمان علی بھی کود پڑی ہیں۔

لکس اسٹائل ایوارڈ 2019 کی مختلف کیٹیگریز میں نامزد ہونے والے متعدد فنکاروں نےجنسی ہراسانی کے خلاف آواز اٹھاتے ہوئے احتجاجاً ایوارڈ انتظامیہ سے اپنی نامزدگی واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے، جب کہ کچھ فنکاروں نے ایوارڈز کا ہی بائیکاٹ کردیا تاہم پاکستان کے معروف ہدایت کار جامی نے تو گزشتہ روز احتجاجاً اپنا ایوارڈ ہی گھر سے باہر سڑک پر رکھ دیا تھا۔

تاہم کچھ فنکار ایوارڈز کی حمایت میں بھی سامنے آئے ہیں جن میں نامور پاکستانی ماڈل و اداکارہ ایمان علی شامل ہیں۔ ایمان علی نے حال ہی میں لکس اسٹائل ایوارڈ کا بائیکاٹ کرنے والے فنکاروں پر تنقید کرتے ہوئے اسے راتوں رات شہرت حاصل کرنے کا طریقہ قرار دیا ہے۔

ایمان علی نے سوشل میڈیا پر لکھا ہے’’ہم لوگ بہت جلدی چیزوں کے بارے میں رائے قائم کر لیتے اور فوراً نتائج اخذ کرتے ہیں، خاص طور پر سوشل میڈیا کے اس دور میں۔ اس پلیٹ فارم کے ذریعے بہت آسانی سے تنازع کا حصہ بن کر راتوں رات شہرت حاصل کی جاسکتی ہے۔ اس کے علاوہ اس پلیٹ فارم کے ذریعے کسی کی بھی زندگی اور کام کو منٹوں میں تباہ کیاجاسکتا ہے۔

ایمان علی نے مزید لکھا کہ شہرت وعزت وقت اورکڑی محنت سے کمائی جاتی ہے نہ کہ کوئی بچکانہ حرکت کرکے یا سوشل میڈیا پر کوئی ایسی پوسٹ شیئر کرکے جس میں آپ خود ہی منصف بن جائیں۔‘‘

ایمان علی کی اس پوسٹ پر لکس اسٹائل ایوارڈ کا سب سے پہلے بائیکاٹ کرنے والی ماڈل ایمان سلیمان نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ ہم نے یہ سب محنت سے حاصل کیا ہے لیکن مجھے یہ دیکھ کر افسوس ہوا کہ آپ نے ہماری محنت اور کوشش کو ہی مسترد کردیا۔

واضح رہے کہ لکس اسٹائل ایوارڈ 2019 میں نامزد ہونے والے زیادہ تر فنکاروں نے گلوکارہ میشاشفیع کی حمایت میں ایوارڈز کا بائیکاٹ کیا ہے، میشا شفیع نے گزشتہ برس گلوکار علی ظفر پر جنسی ہراسانی کا الزام لگایاتھا۔ ایوارڈ کا بائیکاٹ کرنے والوں کا کہنا ہے کہ وہ کسی ایسے شخص کے ساتھ نامزد ہونا نہیں چاہتے جو جنسی ہراسانی جیسے فعل میں مبتلا ہو۔

Google Analytics Alternative