انٹر ٹینمنٹ

بوائے فرینڈ کی تصویر شیئر کرنے پر ماڈل کو 2 کروڑ 35 لاکھ روپے جرمانے کا سامنا

فلسطینی نژاد امریکی سپر ماڈل 24 سالہ جی جی حدید ہمیشہ ہی اپنے فیشن اور معاشقوں کی وجہ سے خبروں میں رہتی ہیں۔

خبریں ہیں کہ ان دنوں جی جی حدید کے 26 سالہ امریکی ماڈل ٹیلر کیمرون کے ساتھ تعلقات ہیں اور انہیں متعدد بار ایک ساتھ دیکھا گیا۔

لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ جی جی حدید کو نئے شخص سے تعلقات استوار کرنے کے وقت میں پرانے بوائے فرینڈ کی تصویر انسٹاگرام پر شیئر کرنے پر کم سے کم پاکستانی 2 کروڑ 35 لاکھ روپے جرمانے کا سامنا ہے۔

جی ہاں، اطلاعات ہیں کہ جی جی حدید پر ایک امریکی فوٹوگرافر نے ہرجانے کا مقدمہ دائر کردیا ہے۔

جی جی حدید پر سابق بوائے فرینڈ زین ملک کا فوٹو شیئر کرنے کا الزام ہے—فوٹو: دی گلیمر
جی جی حدید پر سابق بوائے فرینڈ زین ملک کا فوٹو شیئر کرنے کا الزام ہے—فوٹو: دی گلیمر

شوبز ویب سائٹ ’ای آن لائن‘ کے مطابق جی جی حدید پر اپنے ہی سابق بوائے فرینڈ پاکستانی نژاد برطانوی گلوکار و لکھاری زین ملک کی تصویر شیئر کرنے کا الزام ہے۔

رپورٹ کے مطابق زین ملک کی تصویر کے حقوق امریکی فوٹوگرافر کے پاس تھے اور جی جی حدید نے مالکانہ حقوق حاصل کیے بغیر اپنے سابق بوائے فرینڈ کی تصویر کو انسٹاگرام اسٹوری میں شیئر کردیا تھا۔

جی جی حدید کی جانب سے زین ملک کی تصویر کو انسٹاگرام پر شیئر کرنے کے بعد فوٹوگرافر رابرٹ اونیل نے سپر ماڈل پر ہرجانے کا مقدمہ دائر کردیا۔

جی جی حدید کا شمار دنیا کی معروف ماڈلز میں ہوتا ہے—فوٹو: انسٹاگرام
جی جی حدید کا شمار دنیا کی معروف ماڈلز میں ہوتا ہے—فوٹو: انسٹاگرام

فوٹوگرافر رابرٹ اونیل نے جی جی حدید کے خلاف نیویارک کی عدالت میں مقدمہ دائر کرتے ہوئے ان پر ڈیڑھ لاکھ امریکی ڈالر یعنی پاکستانی 2 کروڑ 35 لاکھ روپے سے زائد کے ہرجانے کا دعویٰ بھی دائر کردیا۔

فوٹوگرافر نے اپنی درخواست میں مؤقف اختیار کیا ہے کہ جی جی حدید کی جانب سے ان کے سابق بوائے فرینڈ کی تصویر شیئر کیے جانے سے ان کی تصاویر کو مالکانہ حقوق حاصل کیے بغیر شیئر کیا جائے گا اور اس تصویر کو مواد بنانے کے لیے بھی استعمال کیا جائے گا۔

جی جی اور زین ملک کے تعلقات 2015 سے 2018 تک رہے—فوٹو: دی مرر
جی جی اور زین ملک کے تعلقات 2015 سے 2018 تک رہے—فوٹو: دی مرر

فوٹوگرافر نے عدالت سے درخواست کی کہ انہیں سپر ماڈل سے زین ملک کی تصویر کو مالکانہ حقوق لیے بغیر شیئر کرنے پر 2 کروڑ 35 لاکھ روپے دلوائے جائیں۔

دوسری جانب اپنے خلاف مقدمہ دائر ہونے کے بعد تاحال جی جی حدید نے کوئی بیان نہیں دیا۔

خیال رہے کہ زین ملک اور جی جی حدید کے درمیان 2015 سے مارچ 2018 تک تعلقات رہے اور دونوں کو متعدد بار ایک ساتھ دیکھا گیا تھا۔

اطلاعات ہیں کہ جی جی حدید نے ماڈل ٹیلر کیمرون سے تعلقات استوار کرلیے—فوٹو: ای آن لائن
اطلاعات ہیں کہ جی جی حدید نے ماڈل ٹیلر کیمرون سے تعلقات استوار کرلیے—فوٹو: ای آن لائن

دونوں ایک دوسرے سے سرعام محبت کا اظہار بھی کرتے رہے تھے اور دونوں کی منگنی کی خبریں بھی تھیں، تاہم اچانک دونوں نے مارچ 2018 میں ایک دوسرے سے الگ ہونے کا اعلان کرکے سب کو حیران کردیا تھا۔

دونوں کی علیحدگی کے بعد یہ خبریں بھی سامنے آئیں کہ دونوں جلد ہی ایک بار پھر ایک ہوجائیں گے، تاہم ایسا نہیں ہوا اور اب خبریں ہیں کہ جی جی حدید کے امریکی ماڈل ٹیلر کیمرون سے تعلقات ہیں۔

تاہم جی جی حدید اور ٹیلر کیمرون نے اپنے تعلقات کی خبروں کے حوالے سے وضاحت نہیں کی۔

واضح رہے کہ جی جی حدید کے والد فلسطینی جب کہ ان کی والدہ نیدرلینڈ کی ہیں۔

جی حدید کی بڑی بہن معروف ماڈل بیلا حدید ہیں، جب کہ ان کے بھائی انور حدید بھی ماڈلنگ کرتے ہیں، حدید بہنوں کا شمار دنیا کی سپر اسٹار ماڈلز میں ہوتا ہے۔

جی جی حدید نے خود پر مقدمہ دائر ہونے پر تاحال کچھ نہیں کہا—فوٹو: انسٹاگرام
جی جی حدید نے خود پر مقدمہ دائر ہونے پر تاحال کچھ نہیں کہا—فوٹو: انسٹاگرام

‘آئرن مین’ کے مداحوں کے لیے بڑی خبر سامنے آگئی

رواں سال ریلیز ہوئی مارول کی کامیاب سپر ہیرو فلم ‘ایوینجرز اینڈ گیم’ میں مشہور زمانہ آئرن مین کے کردار کو مار دیا گیا تھا، جس پر مداحوں نے بےحد مایوسی کا اظہار کیا۔

متعدد سپرہیروز کو ایک پروجیکٹ میں جمع کرکے ایوینجرز سیریز بنائی گئی، جس کے آخری حصے میں سپر ہیرو آئرن مین نے ولن کو مارنے کے لیے اپنی جان بھی گوا دی تھی۔

آئرن مین کے اس کامیاب کردار کو روبرٹ ڈاؤنی جونیئر نے نبھایا اور اب مداحوں کے لیے خوشی کی خبر یہ ہے کہ شاید ان کا یہ پسندیدہ کردار واپسی کرنے جارہا ہے۔

ڈیڈلائن نامی ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق روبرٹ اپنے اس کردار کے ساتھ جلد ریلیز ہونے والی ہولی وڈ فلم ‘بلیک وڈو’ میں واپسی کریں گے۔

فلم بلیک وڈو میں ہولی وڈ اداکارہ اسکارلٹ جونسن نے نتاشا رومن آف کا مرکزی کردار نبھایا اور ان کا یہ سپر ہیرو کردار ایوینجرز کا بھی حصہ رہا ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ اس فلم میں روبرٹ ایک مختصر کردار کے لیے جلوہ گر ہونے جارہے ہیں۔

جبکہ اس فلم میں آئرن مین کے ساتھ ساتھ ایوینجرز کے اور بھی سپر ہیروز نظر آئیں گے۔

فلم ‘بلیک وڈو’ اگلے سال یکم مئی کو سینما گھروں میں نمائش کے لیے پیش کی جائے گی۔

بھارتی گلوکار کی فرحان سعید کا گانا چرانے کے باوجود ڈھٹائی

کراچی: بھارتی گلوکار سلیم مرچنٹ کی پاکستانی گلوکار فرحان سعید کا گانا چرانے کے باوجود ڈھٹائی برقرار ہے، سلیم مرچنٹ کا کہنا ہے کہ یہ محض اتفاق ہے کہ میرا گیت آپ کے گیت کی طرح ہے۔

فرحان سعید نے ٹویٹر پر ایک پوسٹ کی جس میں انہوں نے بھارتی گلوکار کا حقیقی چہرہ دکھاتے ہوئے کہا کہ مجھے سلیم مرچنٹ کا گانا ’ہاریاہ‘ بھیجا گیا جو کہ مکمل طور پر میرے گانے ’رائیاں‘ کی کاپی ہے۔

فرحان سعید نے یہ بھی کہا کہ میں حیران ہوں کہ یہ لوگ دوسرے کی محنت اور کام کو چرا کر خود کو فنکار کہتے ہیں، اگر میرے گانوں کی طرح گانے بنانے ہیں تو پوچھ کر بنائیں اور اگر پوچھنا نہیں ہے کہ کم از کم اچھا تو بنائیں۔

دوسری جانب فرحان سعید کی ٹویٹ پر معذرت کرنے کے بجائے سلیم مرچنٹ ’میں نہ مانوں‘ کی ضد پر اڑے رہے اور کہا کہ میں نے ابھی آپ کا گیت سنا ہے اور یہ اتفاق ہے کہ میرا گیت بھی آپ کے گیت کی طرح ہے، سچ کہوں تو میں نے اس سے قبل یہ گیت کبھی نہیں سنا لیکن ایسا بہت بار ہوتا ہے کہ دھن ایک جیسی ہو جاتی ہے تاہم میں نے یہ گانا کاپی نہیں کیا۔

سلیم مرچنٹ کی ٹویٹ پر فرحان سعید بھی خاموشی نہ رہے۔ انہوں نے بڑے گلوکار ہونے کا مظاہرہ کرتے ہوئے جواب دیا کہ اگر آپ کہتے ہیں کہ یہ محض اتفاق ہے تو یہ ہمارے درمیان دوسری بار ہوا ہے۔

‘نہیں معلوم تھا کہ میں اپنے مستقبل کے ساتھ کھڑی ہوں’

اداکار حمزہ علی عباسی کی اہلیہ نیمل خاور خان نے سوشل میڈیا پر شادی سے قبل لی گئی ایک خوبصورت تصویر کے ساتھ یادیں شیئر کی ہیں۔

حمزہ علی عباسی اور نیمل خاور خان کی شادی گزشتہ ماہ ہوئی تھی جس کے بعد نیمل خاور خان نے شوبز سے خیر باد کہہ دیا تھا۔

دونوں کی نکاح کی تقریب سادگی سے ہوئی تھی جس کے بعد شاندار ولیمہ منعقد کیا گیا تھا۔

نیمل خاور نے شادی سے قبل لی گئی ایک تصویر سوشل میڈیا انسٹاگرام پر شیئر کی اور بتایا کہ یہ ‘اس وقت کی تصویر ہے جب چیزیں ناقابل عمل تھیں ، شاید ہی پتا تھا کہ میں اپنے مستقبل میں ہونے والے شوہر اور زندگی کی محبت کے ساتھ کھڑی ہوں۔

دوسری جانب حمزہ علی عباسی نے بھی انسٹاگرام اسٹوری میں نیمل خاور کے لیے محبت کا اظہار کیا۔

بہت سارے بھارتی ’غدار پاکستانیوں‘ سے کہیں بہتر ہیں، رابی پیرزادہ

کراچی: پاکستانی گلوکارہ رابی پیرزادہ نے سانپ اور مگر مچھ رکھنے پر محکمہ وائلڈ لائف کی جانب سے چالان بھیجنے پر کرارا جواب دیتے ہوئےجانوروں کی ملکیت سے انکار کردیا۔

چند روز قبل گلوکارہ رابی پیرزادہ نے مظلوم کشمیریوں پر ہونےو الے ظلم کے خلاف آواز اٹھاتے ہوئے ایک ویڈیو جاری کی تھی جس میں رابی نے مودی کو للکارتے ہوئے سانپ اورمگر مچھ سے ڈرایاتھا ۔ تاہم دو روز قبل پاکستان محکمہ وائلڈ لائف کی جانب سے گلوکارہ رابی کی ویڈیو پر ایکشن لیتے ہوئے ان پر غیر قانونی طور پر اژدھے، سانپ اور مگر مچھ رکھنے کے الزام میں کارروائی کرتے ہوئے چالان درج کیا گیاہے۔

محکمہ وائلڈ لائف کی کارروائی کے بعد رابی پیرزادہ نے ایک اور ویڈیو جاری کی ہے جس میں انہوں نے ویڈیو اورتصاویر میں دکھائے گئے جنگلی جانوروں کی ملکیت سے انکار کرتے ہوئے محکمہ وائلڈ لائف کو کھری کھری سناتے ہوئے انہیں غدار قرار دیا ہے۔

رابی پیرزادہ نے ویڈیو میں کہا کہ انہیں معلوم نہیں تھا کہ نریندر مودی کے بھارت میں اتنے سارے فالوورز ہیں ۔ 5 سال سے میں نے سانپ رکھے ہوئے ہیں اور ان سانپوں کے ساتھ مختلف نیوز چینلز پر پروگرام بھی کیے ہیں جب تو کسی نے کوئی ایکشن نہیں لیا۔ رابی پیرزادہ نے ویڈیو میں دکھائے گئے سانپ اور اژدھے کی ملکیت سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ یہ سانپ ان کے نہیں ہیں بلکہ کسی اور کی ملکیت ہیں اور انہوں نے ان سانپ کے مالکوں(سپیروں)سے درخواست کی تھی کہ وہ ان کے ساتھ مجھے ویڈیو بنانے دیں۔ رابی نے یہ بھی بتایا کہ ان ویڈیوز سے ہونے والی آمدنی کا کچھ حصہ وہ ان غریب سپیروں کو بھی دیتی ہیں جس سے انہیں آسرا ہوجاتا ہے۔

رابی پیرزادہ نے اپنے بیوٹی سیلون میں رکھے گئے سانپوں کی حقیقت بتاتے ہوئے کہا کہ پہلے ان کے پاس سانپ تھے لیکن جب انہیں ان کا لائسنس نہیں ملا تو انہوں نے بغیر لائسنس کے یہ سانپ اپنے پاس نہیں رکھے ۔  محکمہ وائلڈ لائف کی پول کھولتے ہوئے رابی پیرزادہ نے کہا کہ جب انہوں نے سانپ رکھنے کے لائسنس کے لیے محکمہ وائلڈ لائف سے رابطہ کرنے کی کوشش کی تو وہاں کوئی تھا ہی نہیں۔

رابی پیرزادہ نے کہا اتنے برسوں تک لوگ دیکھتے رہے کہ میرے پاس سانپ ہیں کسی نے کچھ نہیں کہا لیکن جیسے ہی میں نے مودی کو دھمکی دی اور ان سانپوں سے ڈرایا تو افسوس کی بات ہے کہ میرے خلاف فوراً کارروائی کی گئی۔رابی پیرزادہ نےکسی کانام لیے بغیر کہا کہ اگر آپ لوگ پاکستان سے پیار نہیں کرسکتے تو پاکستان کے ساتھ غداری بھی نہ کریں۔

رابی پیرزادہ نے ٹی وی چینلز انتظامیہ کو کھری کھری سناتے ہوئے کہا آپ نے وہ ویڈیو کیوں دکھائی جس میں میں مودی کو باتیں سنارہی ہوں، آپ کے اندر  ذرا سی انسانیت نہیں ہے، بھارت واقعی آپ لوگوں سے بہتر ہے۔ رابی نے کہا میں کبھی بھارتیوں کی برائی نہیں کرتی صرف مودی کی کرتی ہوں کیونکہ مجھے سارے انسان پسند ہیں۔ لیکن بہت سارے بھارتی ، بہت سارے ان پاکستانیوں سے بہتر ہیں جو اپنے ملک کے ساتھ غداری کرتے ہیں اور محکمہ وائلڈ لائف ان غداروں میں سے ایک ہیں۔

رابی پیرزادہ نے محکمہ وائلڈ لائف کو کھری کھری سناتے ہوئے کہا کہ اگر یہ لوگ پہلے میرے خلاف کارروائی کرتے تو مجھے کوئی اعتراض نہیں ہوتا لیکن مودی کو للکارنے کے بعد میرے خلاف ایکشن لینے کی بات کی گئی ۔ رابی پیرزادہ نے محکمہ وائلڈ لائف پر مقدمہ کرنے کی دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ ابھی تک مجھے ادارے کی جانب سے لیٹر نہیں ملا اور آپ کو کس نے اجازت دی کہ میرے متعلق میڈیا میں خبریں دیں۔

رابی پیرزادہ نے مزید کہا کہ انہیں ان تمام لوگوں پر بھی بے حد غصہ ہے جو بھارت کے چاند مشن چندریان2 کی ناکامی پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہہ رہے تھے کہ بھارت کی ترقی رک گئی۔ رابی نے کہا اس سے پہلے انڈیا نے پاکستانی جھنڈے کی بے عزتی کی اس وقت یہ لوگ خاموش کیوں تھے۔

گلوکارہ رابی پیرزادہ نے بھارتی فلموں میں کام کرنے کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ میں بھارتی فلموں میں کام تو دور ان کو دیکھنا تک پسند نہیں کرتی مجھے مودی سے اس لیے دشمنی ہے کیونکہ وہ انسانیت کا دشمن ہے۔

ماں اور اولاد کے درمیان محبت کو سوشل میڈیا پر اجاگر کرتی پاکستانی اداکارائیں

کراچی: شوبز انڈسٹری سے تعلق رکھنے والے افراد نام اور پیسہ کمانے کے لیے بالکل ویسی ہی محنت کرتے ہیں جس طرح کسی دوسرے شعبے میں لوگ اپنے کام کو محنت سے کرتے ہیں۔ تاہم فرق  صرف اتنا ہے کہ شوبز سے وابستہ افراد روایتی انداز میں کام نہیں کرتے بلکہ اکثر ان کے کام کرنے کا وقت مقرر نہیں ہوتا۔ لہٰذا اس صورتحال میں اداکاراؤں کا اپنے گھر اوربچوں کے لیے وقت نکالنا کافی مشکل ہوجاتا ہے لیکن اس کا یہ مطلب نہیں کہ ان کی محبت میں کمی آجاتی ہے بلکہ وہ بھی اپنے بچوں سے بالکل ویسی ہی محبت کرتی ہیں جس طرح دیگر مائیں اپنی اولاد سے کرتی ہیں۔

پاکستان شوبز انڈسٹری میں بہت سی فنکارائیں ہیں جو گھر اور کام کی ذمہ داریاں بخوبی سنبھال رہی ہیں۔ ایسی ہی ماؤں کی تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل ہورہی ہیں جن میں یہ اداکارائیں اپنے بچوں سے محبت کو اجاگر کرتی نظر آرہی ہیں۔

ریما خان

فصیلہ قاضی

ماہرہ خان

عینی خالد

عائزہ خان

ندا یاسر

شائستہ لودھی

جگن کاظم

وینا ملک

فضا علی

نور بخاری

اسما عباس

گل رعنا

صبا فیصل

سعدیہ امام

حدیقہ کیانی

مہرین سید

جویریہ سعود

مومل شیخ

صنم جنگ

متھیرا

انڈین مواد چلانے پر چھاپہ، کیبل آپریٹرز کا پیمرا ٹیم پر حملہ

لاہور: انڈین مواد چلانے پر پیمرا ٹیم کا چھاپہ، کیبل آپریٹرز نے حملہ کردیا۔

پاکستان سٹیزن پورٹل (شکایت سیل) پر شکایت موصول ہونے پر پیمرا انفورسمنٹ ٹیم نے لاہور کے نواحی علاقہ بھوپتیاں میں چھاپہ مارا جہاں پر فرقان عباس اورعرفان وغیرہ غیر قانونی کیبل نیٹ ورک پر انڈین چینلز اور انڈین مواد بذریعہ غیر قانونی ڈی ٹی ایچ چلارہے تھے۔

دوران کارروائی ملزمان فرقان عباس اور عرفان نے 10 سے 12افراد کے ساتھ مل کر پیمرا ٹیم پر حملہ کیا۔ واقعہ کی اطلاع فوری طور پر ڈی آئی جی آپریشنز لاہور اور ایس ایس پی آپریشنز لاہور کو دی گئی جس کے بعد پولیس پارٹی ایس ایچ او چوہنگ کی قیادت میں موقع پر پہنچ گئی۔

تھانہ چوہنگ میں ملزمان کے خلاف ایف آئی آر نمبر2272/19 درج کرلی گئی ہے ۔ پولیس ملزمان کو پکڑنے کے لیے چھاپے مار رہی ہے۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان کے احکامات کے تحت کیبل نیٹ ورک پر انڈین مواد چلانا غیر قانونی ہے۔ جی ایم پیمرالاہور اکرام برکت کا کہنا ہے کہ انڈین مواد پر پیمرا نے زیرو ٹالرنس کی پالیسی اختیار کر رکھی ہے۔

اس سلسلے میں چیئر مین پیمرا محمد سلیم بیگ نے ملک کے تمام صوبوں کا دورہ کر کے کیبل آپریٹرز پر یہ واضح کیاتھا کہ کشمیر کی نازک صورت حال کے پیش نظر ملک میں انڈین مواد کو نشر کرنے سے اجتناب کیا جانا چاہئیے۔ اس ضمن میں کیبل آپریٹرز کی تمام تنظیموں نے حکومت کا بھرپور ساتھ دینے کی یقین دہانی کروائی ہے۔

بھارت میں کشمیری فنکاروں پر بھی زندگی تنگ کردی گئی

ممبئی: مودی حکومت نے مقبوضہ وادی میں تو گزشتہ 40 روز سے مکمل لاک ڈاؤن کیا ہوا ہے تاہم بھارت میں موجود کشمیری فنکار بھی محفوظ نہیں ہیں۔

برطانوی میڈیا کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں آرٹیکل 370 کی منسوخی کے بعد بھارتی شہر ممبئی میں قیام پزیر کشمیری گلوکار عادل گریزی کو کشمیری ہونے کی سزا دی گئی اور ان پر زندگی تنگ کردی گئی۔ 24 سالہ نوجوان عادل گریزی بھارتی شہر ممبئی کے علاقے اندھیری ویسٹ میں اپنے 2 دوستوں کے ساتھ ایک فلیٹ میں رہائش پزیر ہیں، تاہم آرٹیکل 370 کے خاتمے کے بعد انہیں پراپرٹی ایجنٹ کی جانب سے فلیٹ خالی کرنے کے لیے کہا گیا۔

عادل گریزی نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ جب وہ اپریل میں کشمیر میں واقع اپنے گھر گئے ہوئے تھے تو ان کے ایجنٹ نے معاہدے میں ان کی جگہ فلیٹ میں ان کے ساتھ رہنے والے ایک دوسرے لڑکے اجے کا نام لکھ دیا اور کہا کہ واپسی پرمجھے وہاں نہ رہنے دیں۔ 3 ستمبر کو جب میں واپس آیا تو مجھے کہا گیا کہ مجھے فوراً گھر خالی کرنا ہوگا۔ کشمیر میں صورتحال بہت خراب ہے اور ایجنٹ کے مطابق وہ کسی طرح کا رسک نہیں لے سکتا۔ یہاں تک کہ ان کے دوست اجے کو بھی دھمکی دی گئی کہ اگر وہ مجھے غیر قانونی طور پر گھر میں رکھتا ہے تو اسے بھی گھر چھوڑنا پڑے گا۔

دوسرا گھر ڈھونڈنے میں ناکامی پر عادل گریزی نے واپس کشمیر جانے کا فیصلہ کیا لیکن جانے سے پہلے اپنا تلخ تجربہ سوشل میڈیا پر شیئر کیا جس کے بعد ان کی سپورٹ میں پیغامات پوسٹ کیے جانے لگے اور ممبئی کے اوشیوارا پولیس اسٹیشن کے انسپیکٹر رگھو ناتھ کدم نے اس مشکل وقت میں عادل کی مدد کی اور معاہدے میں واپس ان کا نام شامل کروایا ۔ عادل نے کہا کہ وہ انسپیکٹر کدم کے مشکور ہیں کہ انہوں نے ان کی مدد کی۔

دوسری جانب عادل کے پراپرٹی ایجنٹ نے پولیس کی مداخلت کے بعد اپنی حرکت پر معافی مانگی تاہم وہ عادل کو گھر سے نکالنے کی کوئی جائز وجہ نہیں دے پایا۔

عادل نے ممبئی میں کشمیریوں کے ساتھ روا رکھے جانے والے سلوک کے بارے میں بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ میڈیا میں کشمیری نوجوانوں کے بارے میں چلائی جانے والی خبروں کی وجہ سے ہمیں یہاں گھر ملنا مشکل ہوجاتاہے، لوگ ہمیں گھر دیتے ہوئے ڈرتے ہیں اور صاف کہہ دیتے ہیں کہ ہم کشمیریوں کو گھر نہیں دیں گے۔ واضح رہے کہ عادل گریزی اپنے گانے خود لکھتے اور گاتے ہیں یوٹیوب پر ان کے سینکڑوں مداح ہیں۔

Google Analytics Alternative