انٹر ٹینمنٹ

بھارت میں پزیرائی ملتی ہے مگر پہلے پاکستان ہے، راحت فتح علی خان

کراچی: گلوکار اور موسیقار راحت فتح علی خان نے کہا کہ پاکستانی فنکاروں کو بھارت میں پزیرائی ملتی ہے لیکن ہمارے لیے پاکستان پہلے ہے۔

کراچی پریس کلب میں پریس کانفرنس کے دوران راحت فتح علی خان کا کہنا تھا کہ انہیں آکسفورڈ یونیورسٹی نے ڈاکٹریٹ کی ڈگری سے نوازا ہے، جو کہ خاندان کے لئے اللہ کی طرف سے خاص اعزاز ہے کیونکہ حرم شریف میں عمرے کی ادائیگی کے دوران دعا مانگنے کے ایک گھنٹے بعد اس کی اطلاع ملی۔

راحت فتح علی خان نے کہا کہ بھارت میں فنکار کو پزیرائی ملتی ہے مگر پہلے پاکستان ہے، پاکستان میں حکومت کی جانب سے مجھے جو عزت اور پزیرائی ملی، اس سے مطمئن ہوں، جب کہ انہوں نے یہ بھی کہا کہ  ضرورت مند فنکاروں کی دادرسی کے خصوصی منصوبے پر کام کررہے ہیں۔

ٹام کروز کی بیٹی باپ سے آگے نکلنے میں مصروف

ہولی وڈ ایکشن ہیرو، فلم ساز، پروڈیوسر اور متنازع مذہبی نظریات کے حامل 56 سالہ ٹام کروز یوں تو اپنی اداکاری کی وجہ سے خبروں میں رہتے ہیں۔

تاہم ان دنوں وہ اپنی 26 سالہ بیٹی ازابیل کروز کی جانب سے مذہبی نظریات کی اپنائی جانے والی کوششوں کی وجہ سے خبروں میں ہیں۔

اطلاعات ہیں کہ ٹام کروز اور اداکارہ نکول کڈمین کی گود لی گئی 26 سالہ بیٹی ازابیل کروز بھی والد کی طرح متنازع مذہبی خیالات کی حامل تنظیم’سائنٹولوجی‘ میں خدمات سر انجام دینا چاہتی ہیں۔

معروف امریکی میگزین ’پیپلز‘ کے مطابق ازابیل کروز کی جانب سے حال ہی میں برطانیہ کی تنظیم ’سائنٹولوجی‘ کو لکھے گئے خط میں اس عزم کا اظہار کیا گیا کہ وہ تنظیم میں بطور رکن خدمات سر انجام دینا چاہتی ہیں۔

رپورٹ کے مطابق ازابیل کروز نے تنظیم کو خط میں گزارش کی ہے کہ وہ تنظیم میں بطور ’آڈیٹر‘ خدمات سر انجام دے کر لوگوں کی تربیت کرنا چاہتی ہیں۔

ازابیل کروز اداکار و اداکارہ کی گود لی بیٹی ہے—فوٹو: ڈیلی میل
ازابیل کروز اداکار و اداکارہ کی گود لی بیٹی ہے—فوٹو: ڈیلی میل

ازابیل کروز کی جانب سے تنظیم کو بھیجی گئی ای میل میں انہوں نے اپنے والد ٹام کروز کی بھی تعریف کی اور والد کی طرح ’سائنٹولوجی‘ کا حصہ بننے پر فخر کا اظہار بھی کیا۔

تاہم انہوں نے اپنی والدہ اداکارہ نکول کڈمین کا ذکر نہیں کیا۔

رپورٹ کے مطابق ازابیل کروز لندن کے چرچ آف سائنٹولوجی کی ’آڈیٹر’ بن کر روحانی اور نفسیاتی طور پر بھٹکے ہوئے لوگوں کی رہنمائی کرنا چاہتی ہیں۔

خیال رہے کہ ’چرچ آف سائنٹولوجی‘ کو اگرچہ امریکا اور برطانیہ کی اکثر آبادی مذہبی نہیں مانتی، تاہم اس تنظیم سے منسلک لوگ خود کو جدید اور سیکولر مذہب کا حصہ مانتے ہیں۔

یہ در اصل ایک ایسی تنظیم ہے جو کسی تعلیمی ادارے کی طرح کام کرتی ہے اور اس کے امریکا اور برطانیہ سمیت یورپ اور امریکا کے چند ممالک میں چرچز موجود ہیں۔

ان چرچز میں مذہبی خدمات ادا کرنے والے اسکالرز کو ’سائنٹولوجسٹ‘ کہا جاتا ہے۔

متنازع نظریات کا یہ چرچ تعلیمی ادارے کی طرح کام کرتا ہے—فوٹو: سپلائڈ
متنازع نظریات کا یہ چرچ تعلیمی ادارے کی طرح کام کرتا ہے—فوٹو: سپلائڈ

اسی طرح ان چرچز میں اپنے نظریات کو پھیلانے کے لیے ’آڈیٹرز‘ سمیت اسی طرح کے دیگر ناموں سے ایسے کارکنان بھی کام کرتے ہیں جو لوگوں کو ’سائنٹولوجی‘ کی طرف راغب کرتے ہیں۔

ان چرچز اور اداروں میں غیر محرم مرد اور خواتین کے درمیان عارضی شادیاں کرائے جانے سمیت کئی ایسے متنازع کاموں کو بھی جائز اور قانونی مانا جاتا ہے، جنہیں امریکا و ویورپ کے کئی ممالک میں ناجائز اور غیر قانونی تسلیم کیا جاتا ہے۔

یہ تنظیم ان شادیوں کے لیے اپنے نظریات کے حامل افراد سے رابطہ کرتی ہے جو پہلے ہی تنظیم میں اپنی رجسٹریشن کروا چکے ہوتے ہیں۔

کہا جاتاہے کہ ’چرچ آف سائنٹولوجی‘ میں نہ صرف معروف اداکاروں و کاروباری مرد حضرات بلکہ معروف خواتین نے خفیہ رکنیت حاصل کر رکھی ہے، تاہم اس حوالے سے جن افراد پر الزامات لگائے جاتے ہیں وہ الزامات کو مسترد کرتے آئے ہیں۔

اداکار ٹام کروز کے حوالے سے بھی کہا جاتا ہے کہ اس تنظیم کے رکن رہے ہیں اور انہوں نے ’چرچ آف سائنٹولوجی‘ کے نظریات کے تحت ہی متعدد خواتین سے عارضی شادیاں کیں۔

رپورٹس ہیں کہ ٹام کروز نے سائنٹولوجی نظریے کے تحت کم سے کم 3 شادیاں کیں، انہوں نے نکول کڈمین سمیت دیگر اداکاراؤں سے بھی اسی نظریے کے تحت شادی کی تھی۔

ازابیل کروز شادی شدہ ہیں—فوٹو: اسپلاش نیوز
ازابیل کروز شادی شدہ ہیں—فوٹو: اسپلاش نیوز

ٹام کروز اور نکول کڈ مین کے درمیان 1990 میں تعلقات استوار ہوئے، بعد ازاں انہوں نے شادی بھی کی، جو طلاق پر ختم ہوئی اور انہوں نے ازابیل کروز سمیت 2 بچوں کو گود بھی لیا۔

’چرچ آف سائنٹولوجی‘ معروف اور بڑی شخصیات کی فرمائش پر ان کی عارضی شادیاں کروانے کے لیے بھی کردار ادا کرتا ہے۔

نشریاتی ادارے وینٹی فیئر کی ایک رپورٹ کے مطابق جس وقت چرچ آف سائنٹولوجی نے ٹام کروز کے لیے عارضی بیوی کے لیے خواتین کے انٹرویوز کیے تھے،اس وقت انٹرویوز میں ایرانی اداکارہ نازنین بیونڈی کو بھی منتخب کیا گیا تھا۔

6 سال قبل شائع ہونے والی وینٹی فیئر کی رپورٹ کے مطابق ٹام کروز اور نازنین بیونڈی کے درمیان 2001 میں تعلقات استوار ہوئے اور 2004 تک جاری رہے۔

گزشتہ برس جون میں بھی یہ خبر سامنے آئی تھی کہ ’چرچ آف سائنٹولوجی‘ کے تحت ہی اداکارہ اسکارلٹ جانسن بھی ٹام کروز کی اہلیہ بننے کے لیے انٹرویو دے چکی ہیں۔

رپورٹس کے مطابق ٹام کروز اور نکول کڈ مین نے بھی سائنٹولوجی کے تحت شادی کی تھی—فائل فوٹو: وینٹی فیئر
رپورٹس کے مطابق ٹام کروز اور نکول کڈ مین نے بھی سائنٹولوجی کے تحت شادی کی تھی—فائل فوٹو: وینٹی فیئر

اسکارلٹ جانسن کے حوالے سے یہ انکشاف ’چرچ آف سائنٹولوجی‘ میں سائنٹولوجسٹ رہنے والے برینڈن ٹائی نے این بی سی کو دیے گئے ایک انٹرویو میں کیا تھا۔

برینڈن ٹائی نے دعویٰ کیا تھا کہ جن دنوں ٹام کروز اور نکول کڈ مین کے درمیان علیحدگی ہوئی تھی ان دنوں ٹام کروز کی دوسری شادی کے لیے جن خواتین کے انٹرویوز کیے گئے ان میں اسکارلٹ جانسن بھی شامل تھیں۔

تاہم اس انٹریو کے فوری بعد اسکارلٹ جانسن نے ان الزامات کو مسترد کرتے ہوئے انہیں خیالی اور جھوٹا قرار دیا تھا۔

اسکارلٹ جانسن کا کہنا تھا کہ وہ ایسے تعلقات یا شادی کے گھٹیا کام کےلیے سوچ بھی نہیں سکتیں۔

ٹام کروز سے عارضی شادی کے انٹرویو کی خبروں کو اسکارلٹ جانسن نے جھوٹا قرار دیا تھا—فوٹو: پریس فورم
ٹام کروز سے عارضی شادی کے انٹرویو کی خبروں کو اسکارلٹ جانسن نے جھوٹا قرار دیا تھا—فوٹو: پریس فورم

پیار، حسد، جھگڑے اور غلط فہمیوں کی کہانی ’چھلاوا‘

اداکارہ مہوش حیات اگرچہ ان دنوں تمغہ امتیاز حاسل کرنے کی وجہ سے ہونے والی بے جا تنقید کی وجہ سے خبروں میں ہیں، تاہم ان کے مداحوں کے لیے اچھی خبر یہ ہے کہ ان کی آنے والی فلم کا ٹیزر جاری کردیا گیا۔

مہوش حیات، اظفر رحمٰن، زارا نور عباس اور محمود اسلم سمیت دیگر اداکاروں کی کاسٹ پر مبنی فلم رومانٹک، کامیڈی اور سسپنس سے بھرپور فلم ’چھلاوا‘ کا پہلا ٹیزر ٹریلر جاری کردیا گیا۔

ایک منٹ سے زائد دورانیے کے ٹیزر سے فلم کی مکمل کہانی کو سمجھنا مشکل ہے، تاہم اسے دیکھ کر اندازہ ہوتا ہے کہ فلم پیار، حسد، کچھ خاندانی اور ذاتی جھگڑوں سمیت محبت میں ہونے والی غلط فہمیوں کے گرد گھومتی ہے۔

ٹیزر ٹریلر میں جہاں مہوش حیات اور اظفر رحمٰن کو رومانس کرتے دکھایا گیا ہے، وہیں انہیں دوسرے مسائل کو حل کرتے ہوئے بھی دکھایا گیا ہے۔

مہوش حیات نے فلم میں مرکزی کردار ادا کیا ہے—اسکرین شاٹ
مہوش حیات نے فلم میں مرکزی کردار ادا کیا ہے—اسکرین شاٹ

ٹیزر میں جہاں مہوش حیات کو دلہن کے عروسی لباس میں دکھایا گیا ہے، وہیں انہیں شادی کے موقع پر کوئی راز سامنے آنے کے بعد ٹوٹتے، بکھرتے اور چیزوں کو توڑتے ہوئے بھی دکھایا گیا ہے۔

ٹیزر میں جہاں ان دونوں کی جھلک دکھائی گئی ہے وہیں زارا نور عباس، محمود اسلم، اسد صدیقی اورعاشر وجاہت کو بھی دکھایا گیا ہے۔

زرا نور عباس بھی اہم کردار ادا کرتی دکھائی دیں گی—اسکرین شاٹ
زرا نور عباس بھی اہم کردار ادا کرتی دکھائی دیں گی—اسکرین شاٹ

فلم ساز وجاہت رؤف کی اس فلم کی پہلی جھلک رواں ماہ 15 مارچ کو جاری کی گئی تھی جس میں مہوش حیات کے کردار زویا کی تصویر جاری کی گئی تھی۔

ٹیزر سے فلم کی کہانی سمجھنا مشکل ہے—اسکرین شاٹ
ٹیزر سے فلم کی کہانی سمجھنا مشکل ہے—اسکرین شاٹ

’چھلاوا‘ کو رواں برس عیدالفطر پر ریلیز کیا جائے گا۔

فلم کی کہانی بھی وجاہت رؤف نے لکھی ہے اور اسے ہم فلمز کے بینر تلے ریلیز کیا جائے گا۔

میکال ذوالفقارکی فلم ’’شیردل‘‘ نے ریلیزکے 5 دنوں میں 5 کروڑکمالیے

کراچی: یوم پاکستان کے موقع پرریلیز ہونے والی فلم ’’شیردل‘‘ ریلیز کے 5 دنوں میں 5 کروڑ سے زائد کا بزنس کرنے میں کامیاب ہوگئی۔

نامورپاکستانی اداکارمیکال ذوالفقار اورارمینا خان کی پاک فضائیہ کے موضوع پرمبنی فلم ’’شیردل‘‘ شائقین کو متاثرکرنے میں کامیاب رہی ہے۔ فلم ریلیز کے پہلے روز ہی ایک کروڑ سے زائد کا بزنس کرنے میں کامیاب رہی تھی۔

 

’’شیردل‘‘ کی کامیابیوں کا سفر جاری ہے، پاکستان میں فلموں کے بزنس کے اعدادوشمار مرتب کرنے والی ویب سائٹ انٹرٹینمنٹ ڈاٹ پی کے کے مطابق فلم ’’شیردل‘‘

ریلیز کے پہلے روز ایک کروڑ 15 لاکھ، دوسرے روز ایک کروڑ 7 لاکھ، تیسرے روز ایک کروڑ 3 لاکھ، چوتھے روز 47 لاکھ اور پانچویں روز 55 لاکھ کا بزنس کرکے مجموعی طور پر ریلیز کے 5 روز میں 5 کروڑ 17 لاکھ کا بزنس کرنے میں کامیاب رہی ہے۔

فلمی حلقوں کا کہنا ہے کہ 29 مارچ کو ریلیز ہونے والی ہمایوں سعید، شہریار منور اورسائرہ شہروز کی فلم ’’پراجیکٹ غازی‘‘ فلم ’’شیردل‘‘ کو بڑی ٹکر دے گی۔

معروف گلوکارعطاء اللہ خان عیسیٰ خیلوی کی طبیعت ناساز، اسپتال داخل

 لاہور: بین الاقوامی شہرت یافتہ گلوکار عطاء اللہ خان عیسیٰ خیلوی کی طبیعت ناساز ہونے کے باعث انہیں اسپتال میں داخل کرادیا گیا ہے۔

پاکستان کے معروف گلوکارعطاء اللہ خان عیسیٰ خیلوی کو لاہور کے نجی اسپتال میں داخل کرادیا گیا ہے جہاں ڈاکٹروں نے ان کے مختلف ٹیسٹ کرنے کے بعد علاج شروع کردیا ہے۔

ذرائع کے مطابق عطاء اللہ عیسیٰ خیلوی کی کمر میں شدید درد کے باعث انہیں اسپتال داخل کرایا گیا ہے جب کہ اب ان کی طبیعت پہلے سے بہتر محسوس ہورہی ہے۔

واضح رہے عطاء اللہ عیسیٰ خیلوی کی طبعیت ناساز ہونے کے باعث لاہور آرٹس کونسل کے زیر اہتمام  29 مارچ کو ہونے والا گرینڈ شو کو بھی منسوخ کردیا گیا ہے۔

پاکستان میں موسیقی سے وابستہ افراد مالی مشکلات کا شکار

لاہور: پاکستان میں فنون لطیفہ کے شعبوں میں عدم دلچسپی کے باعث موسیقی سے وابستہ افراد مالی مشکلات کا شکار ہوگئے۔

پاکستان میں موسیقی کے شعبے سے وابستہ سازندوں کی بڑی تعداد کام نہ ہونے کی وجہ سے بے یارومددگار پھرتی نظر آتی ہے، کوئی ریکارڈنگ اسٹوڈیوز کے باہر ماضی کی یادیں تازہ کرتا ہے تو کوئی چائے کے کھوکھے پر بیٹھ کر ایک دوسرے کے دکھ سنتا ہے، مالی مشکلات سے دوچار سازندے جہاں بے روزگار ہیں وہیں مالی مشکلات کے باعث مختلف بیماریوں میں بھی مبتلا ہو رہے ہیں۔

ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ سازندوں کی اکثریت کرائے کے گھروں میں رہتی ہے اور بہت سے سازندوں نے تو اپنے بچوں کو اسکول بھیجنا بھی چھوڑ دیا ہے جس کی بڑی وجہ بے روزگاری ہے۔

دوسری جانب حکومت کی طرف سے اس  شعبے پر کچھ خاص توجہ نہیں دی جارہی جہاں تک بات نامور گلوکاروں کی ہے تو ان میں سے اکثر بیرون ممالک ہونے والے پروگراموں میں حصہ لے رہے ہیں لیکن اپنے ساتھ سازندوں کو لے جانے کے بجائے سی ڈی یا ڈیٹ پر پرفارم کرکے پیسے بنا رہے ہیں۔

پڑوسی ملک بھارت کے گلوکار دنیا میں کہیں بھی پرفارم کرنے کے لیے جائیں تو ان کے ساتھ 10 سے 20 سازندے اور تکنیکی ٹیم بھی بیرون ممالک جاتی ہے مگر ہمارے ہاں ایک طرف حکومت کی سپورٹ نہ ہونے کے برابر ہے اور دوسری طرف گلوکار بھی بس خود کو مالی طور پر مضبوط کرنے میں لگے ہیں۔

اس صورتحال کے باعث آج پاکستان میں موسیقی کے شعبے سے وابستہ افراد کی بڑی تعداد بحران سے دوچار ہے، اگر ابھی بھی اس شعبے پر توجہ نہ دی گئی تو حالات مزید خراب ہوں گے۔

آکسفورڈ یونیورسٹی سے راحت فتح علی خان کیلئے بڑا اعزاز

لندن: پاکستانی گلوکارراحت فتح علی خان کوآکسفورڈ یونیورسٹی کی جانب سے اعزازی ڈگری سے نوازے جانے کا اعلان کیا گیا ہے۔

گلوکار راحت فتح علی خان کو موسیقی کے شعبے میں گراں قدرخدمات انجام دینے کے لیے برطانیہ کی معروف آکسفورڈ یونیورسٹی سے اعزازی ڈگری سے نوازا جائے گا۔ اعزازی ڈگری دینے کی تقریب 26 جون کو منعقد ہوگی۔

راحت فتح علی خان کے ساتھ سات مزید لوگوں کو مختلف شعبوں میں گراں قدرخدمات انجام دینے کے لیے اعزازی ڈگری سے نوازا جائے گا۔ آکسفورڈ یونیورسٹی انتظامیہ کے مطابق راحت فتح علی خان نے ایسے خاندان میں آنکھ کھولی جو جنوبی ایشیائی موسیقی کی پہچان بن گیا ہے۔ انہوں نے موسیقی کی ابتدائی تعلیم سات سال کی عمرسے لینی شروع کی اوراب تک 50 سے زائد البم ریلیز کرچکے ہیں۔

اس خبرکوبھی پڑھیں: ہندوانتہا پسندوں نے پاکستانی گلوکاروں کو بھی نا بخشا

راحت فتح علی خان نے دنیا بھرمیں بے شمارکنسرٹ میں پرفارم کیا ہے اس کے علاوہ وہ اب تک 50 سیریلزکے ٹائٹل سانگ اوربالی ووڈ، ہالی ووڈ اور پاکستانی فلموں کے لیے پلے بیک گلوکاری کرچکے ہیں۔ ان کی موسیقی کے شعبے میں گراں قدر خدمات کے اعتراف میں انہیں اعزازی ڈگری سے نوازے جانے کا اعلان کیا گیا ہے۔

صحیفہ جبار نئے ڈرامے میں بوڑھی خاتون کا کردار ادا کرنے کیلئے تیار

ہٹ ڈرامے بیٹی کے بعد صحیفہ جبار خٹک ایک بار پھر ایک ماں کا کردار ادا کرنے والی ہیں، مگر اس بار انہیں اولاد کی پرورش میں مسائل کا سامنا ہوگا۔

ڈرامہ ‘داغ’ کی کہانی ایسی خاتون کی ہے جس کی شادی محج 15 دن چلتی ہے (شوہر کی ماں بیٹے کو طلاق دینے پر مجبور کرتی ہے)۔

یہ خاتون پھر اپنی بیٹی (صبور علی) کے حقوق کی جنگ لڑتی ہے اور اسے اپنی جیسی قسمت کا شکار ہونے سے بھی بچاتی ہے۔

یہ پہلی بار ہے کہ صحیفہ جبار جوانی سے بڑھاپے کے کردار میں نظر آئیں گی اور ایسا بہت کم ہوتا ہے کہ اتنی کم عمر اداکارہ زیادہ عمر کے کردار کو ادا کرنے کے لیے تیار ہوگئی ہو۔

تاہم صحیفہ جبار کا کہنا تھا کہ اس ڈرامے کا پیغام انتہائی اہم ہے۔

انہوں نے بتایا ‘ میں ایک معمر خاتون کا کردار اپنے کیرئیر کے آغاز میں ادا کررہی ہوں مگر میں واقعی ایسا کرنا چاہتی تھی، میں ہمیشہ گلیمرس گرل کا کردار ادا کرنا نہیں چاہتی’۔

فوٹو بشکریہ ڈان امیجز
فوٹو بشکریہ ڈان امیجز

مگر ان کے لیے مشکل بس یہ تھی کہ وہ اپنے کردار کے تقاضوں کو بخوبی ادا کرسکیں ‘میرا اداکاری کا تجربہ ابھی بہت زیادہ نہیں اور میں بڑی اسٹار کاسٹ کے ساتھ کام کررہی ہوں، صبور خود بہت اچھی اداکارہ ہیں، میرے لیے جوانی اور بڑھاپے کا کردار ادا کرنا چیلنجنگ ثابت ہوا’۔

اس ڈرامے میں صحیفہ جبار کے ساتھ کاشت محمود، نادیہ افغان، صبور علی، عفان وحید اور صبا حمید اہم کردار ادا کریں گے جبکہ اسے محسن مرزا نے ڈائریکٹ، عبداللہ سیجا نے پروڈیوس جبکہ علی معین نے تحریر کیا ہے۔

اس ڈرامے کی عکسبندی ابھی جاری ہے۔

Google Analytics Alternative