انٹر ٹینمنٹ

سوشل میڈیا صارفین کا عائزہ اور ہمایوں کے ڈرامے کیلئے آسکر کامطالبہ

کراچی: اداکار ہمایوں سعید، عائزہ خان اورعدنان صدیقی کے ڈرامے’’میرے پاس تم ہو‘‘ نے سوشل میڈیا پر دھوم مچائی ہوئی ہے اور لوگ ڈرامے میں فنکاروں کی بہترین پرفارمنس کی دل کھول کر داد رہے ہیں۔

اداکار ہمایوں سعید، عائزہ خان اورعدنان صدیقی کا نجی ٹی وی چینل پر نشر ہونے والا ڈراما ’’میرے پاس تم ہو‘‘اپنی پہلی ہی قسط سے پاکستانیوں کا پسندیدہ ڈراما بناہوا ہے۔ تاہم اس ڈرامے کی گزشتہ روز نشر ہونے والی بارہویں قسط نے تو پورے سوشل میڈیا پر دھوم مچادی ہے۔

ڈراما سیریل’’میرے پاس تم ہو‘‘ کی کہانی ایک شادی شدہ جوڑے کے گرد گھومتی ہے جن کی ہنستی بستی خوشحال چھوٹی سی جنت پیسے کی لالچ کے باعث جہنم بن جاتی ہے۔ اس ڈرامے کی کہانی پاکستان کے معروف مصنف و ہدایت کار خلیل الرحمان قمر نے تحریر کی ہے۔

ڈرامے میں ہمایوں سعید نے متوسط طبقے سے تعلق رکھنے والے شخص دانش کا کردار نبھایا ہے جو اپنی بیوی مہوش (عائزہ خان) سے بے حد محبت کرتا ہے۔ عائزہ خان کو ڈرامے میں ایک دھوکا دینے والی، بے وفا عورت کے روپ میں دکھایاگیا ہے جو پیسوں کے لیے اپنے گھر کو اپنے ہاتھوں سے برباد کردیتی ہے۔ جب کہ ڈرامے میں عدنان صدیقی نے ایک بزنس مین شہوار کا کردار نبھایا ہے۔

ڈرامے کی کہانی ویسے تو سادہ سی ہے لیکن ڈرامے میں ہمایوں سعید اور عائزہ خان کی پرفارمنس اوربہترین ڈائیلاگ ڈیلیوری نے اس ڈرامے کو پاکستان کا مقبول ترین ڈراما بنادیا ہے۔ گزشتہ روز ڈرامے کی بارہویں قسط پیش کی گئی جس میں دکھایا گیا ہے کہ عائزہ اپنے شوہر کو چھوڑ کر عدنان صدیقی کے ساتھ چلی جاتی ہیں اور اس موقع پر ایک باوفا شوہر کی حالت کیا ہوتی ہے اسے ہمایوں سعید نے بخوبی پیش کیا ہے۔

گزشتہ روز نشر ہونے والی قسط کے ایک ڈائیلاگ نے پورے سوشل میڈیا پر دھوم مچارکھی ہے جس میں ہمایوں سعید عدنان صدیقی کو کہہ رہے ہیں’’دیکھنے سننے میں بڑے ذہین بزنس میں لگتے ہیں شہوار صاحب لیکن یہاں بھاؤ (سودے بازی ) کرتے ہوئے آپ نے مجھے حیران کردیا، اس دو ٹکے کی لڑکی کے لیے آپ مجھے 50 ملین دے رہے تھے۔ ‘‘

اس سین میں عائزہ خان اورہمایوں سعید کی پرفارمنس کی بے حد تعریف کی جارہی ہے اورلوگ سوشل میڈیا پراتنے عمدہ ڈائیلاگز لکھنے پر داد دیتے ہوئے کہہ رہے ہیں کہ اسے آسکر ملنا چاہیئے۔

رابی پیرزادہ کی خودکشی سے متعلق خبروں پر والد کا بیان سامنے آگیا

لاہور: گلوکارہ رابی پیرزادہ کے والد ہمایوں پیرزادہ نے بیٹی کی خود کشی سے متعلق خبروں کی تردید کردی۔

گزشتہ روز گلو کارہ رابی پیرزادہ کی سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی نازیبا اور غیر اخلاقی ویڈیوز نے تہلکہ مچادیا تھا اور دیکھتے ہی دیکھتے ٹوئٹر پر بھی ٹاپ ٹرینڈ بن گیا تھا جس کے بعد وہ سوشل میڈیا پر شدید تنقید کی زد میں آگئیں، کئی صارفین نے انہیں تنقید کا نشانہ بنایا جب کہ بہت سے لوگ ان کی حمایت میں آگے بھی آئے۔

رابی پیرزادہ نے اپنی لیک ہونے والی ویڈیوز کے خلاف فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی کے سائبر کرائم ونگ لاہور میں تحقیقات کی درخواست دائر کی جس پر ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ نے گلوکار ہ کی نازیبا تصاویر اور ویڈیوز سوشل میڈیا پر وائرل کیے جانے کے خلاف تحقیقات شروع کردی ہیں۔

تاہم اب رابی پیر زادہ کی سوشل میڈیا پر خودکشی کی خبریں زیر گردش ہیں جس پر گلوکارہ کے والد ہمایوں پیرزادہ نے ان خبروں کی تردید کرکرتے ہوئے کہا ہے کہ رابی بالکل ٹھیک ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز وائرل ہونے والی ویڈیوز پر رابی پیرزادہ نے کہا تھا کہ انہوں نے اپنے موبائل فون میں کچھ خرابی آنے کے باعث اسے ٹھیک کرنے کے لیے دیا تھا اور کسی نے ان کے موبائل فون سے ان کی ویڈیوز اورتصاویر چرا کر انہیں سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کردیا تھا۔

عمران خان سے متعلق مولانا فضل الرحمان کے بیان نے میرا دل توڑدیا، نیلم منیر

کراچی: اداکارہ نیلم منیر نے مولانا فضل الرحمان کے وزیراعظم عمران خان سے متعلق دئیے گئے بیان پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ ان  کے بیان نے میرا دل توڑ دیا۔

اداکارہ نیلم منیر نے ملک میں چل رہی سیاسی ہلچل کے بارے میں اپنی رائے کے اظہار کے لیے سوشل میڈیا کا استعمال کرتے ہوئے آزادی مارچ اور مولانا فضل الرحمان کے بارے میں اپنے خیالات کا اظہار کیا ہے۔ نیلم نے انسٹاگرام پر پاکستانی جھنڈے کے ساتھ اپنی تصویر شیئر کرنے کے ساتھ مولانا فضل الرحمان کی آزادی مارچ کے دوران کی گئی تقریر پر ردعمل کا اظہار کیا ہے۔

نیلم منیر نے لکھا کہ میں دل سے تمام مذبی اسکالرز کی عزت کرتی ہوں اور ان کی تقاریر اور لیکچرز سے رہنمائی حاصل کرتی ہوں۔ آج مولانا صاحب نے عمران خان کو ان کے گھر سے گرفتار کرنے کی دھمکی دی اور مولانا صاحب کی اس دھمکی نے میرا دل توڑ دیا۔

نیلم منیر نے لکھا کہ ہمارا ملک افراتفری، انتشار اور سول نافرمانی کا متحمل نہیں ہوسکتا۔ ہم نوجوانوں کو اپنی  تقدیر سنبھالنے کی ضرورت ہے جس کا صرف ایک ہی راستہ ہے کہ ہم ملک میں انتشار پھیلانے والوں کی ایک نہ سنیں۔ ہم نوجوانوں کو ان لوگوں اور اداروں کے خلاف متحد ہونا ہوگا، چاہے وہ کوئی بھی ہو، جو ہمارے پیارے ملک کو برباد کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔

واضح رہے کہ مولانا فضل الرحمان نے گزشتہ روز تقریر کے دوران کہا تھا وزیراعظم عمران خان کے پاس مستعفی ہونے کےلیے 2 دن کی مہلت ہے، وگرنہ عوام کا سمندر طاقت رکھتا ہے کہ وزیراعظم کے گھر جاکر انہیں گرفتار کرلے۔

نیلم منیر حال ہی میں فلم ’’کاف کنگنا‘‘ میں کیے گئے آئٹم سانگ اور اس آئٹم سانگ کو آئی ایس پی آر کا پروجیکٹ قرار دینے کی وجہ سے سوشل میڈیا پر کافی تنقید کی زد میں رہی ہیں۔ نیلم منیر کا کہنا تھا کہ ’’کاف کنگنا‘‘ آئی ایس پی آر کا پروجیکٹ تھا اور اسی لیے انہوں نے آئٹم سانگ کرنے کی ہامی بھری۔ پاکستان کے لیے ان کی جان بھی حاضر ہے

علی اور میشا کے کیس میں اداکارہ عفت عمر نے بیان ریکارڈ کرادیا

لاہور: علی ظفر کی جانب سے میشا شفیع کے خلاف ہتک عزت کے کیس میں اداکارہ عفت عمر نے بھی بیان قلم بند کرادیا۔

لاہور کی سیشن کورٹ میں ایڈیشنل سیشن جج امجد علی شاہ نے میشا کے خلاف علی ظفر کے ہتک عزت کے کیس  کی سماعت کی جس میں عدالت نے دیگر گواہان کا ریکارڈ قلم بند کیا۔

میشا شفیع کے وکیل ثاقب جیلانی اور علی ظفر کے وکیل حشام احمد خان اور بیرسٹر عنبرین بھی کمرہ عدالت میں موجود تھے۔

دورانِ سماعت اداکارہ عفت عمر نے اپنا بیان ریکارڈ کراتے ہوئے کہا کہ میں پروفیشنل ایکٹر ہوں، ٹی وی پروگرام کی ڈائریکٹر بھی ہوں اور میں اس شعبے میں پچھلے 30 سال سے ہوں۔

انہوں نے کہا کہ میں علی ظفر اور میشا شفیع دونوں کو جانتی ہوں جب کہ علی کے والد میرے استاد بھی تھے، میشا اور ان کی والدہ کی اس پیشے میں بہت زیادہ عزت ہے۔

اداکارہ نے  عدالت کو بتایا کہ علی نے ماڈلنگ شروع کرتے ہوئے مجھ سے رابطہ کیا اور میرے ساتھ ہی مل کر ٹی وی  پر پہلا پلے کیا۔

عدالت نے اداکارہ کا بیان قلم بند کرنے کے بعد کیس کی مزید سماعت 9 نومبر تک ملتوی کردی۔

یاد رہے کہ دو روز قبل لاہور کی سیشن کورٹ میں گلوکارہ میشا شفیع کے خلاف 100 کروڑ روپے کے ہتک عزت کیس کی سماعت ہوئی تھی جس میں ان کی والدہ صبا حمید کا بیان ریکارڈ کیا گیا تھا۔

صبا حمید کا کہنا تھا کہ عام طور پر خواتین ایسے واقعات کا نہیں بتاتیں، البتہ میں نے اس کے مثبت اور منفی نتائج کے بارے میں بتایا تھا۔

گزشتہ سال میشا شفیع نے گلوکار علی ظفر پر جنسی ہراساں کرنے کا الزام عائد کیا تھا۔

میشا شفیع کا کہنا تھا کہ جنسی ہراسانی پر بات کرنا آسان نہیں لیکن اس پر خاموش رہنا بھی بہت مشکل ہے، میں خاموش رہنے کے کلچر کو توڑوں گی جو معاشرے میں سرائیت کرچکا ہے۔

گلوکار و اداکار علی ظفر نے میشا شفیع کی جانب سے ہراساں کرنے کے الزامات کی تردید کر تے ہوئےکہا تھا کہ میں الزام کا جواب الزام سے نہیں دوں گا بلکہ میشا شفیع کے خلاف عدالت جاؤں گا اور مجھے پورا یقین ہے کہ سچ ہمیشہ غالب ہوتا ہے۔

علی ظفر کی جانب سے ہراسانی کا الزام لگانے پر میشا شفیع پر 100 کروڑ روپے ہرجانے کا مقدمہ دائر کیا گیا ہے۔

’اسپائیڈرمین‘ سیریز کی پہلی اینیمیٹڈ فلم کا سیکوئل بنانے کا اعلان

شہرت یافتہ سائنس فکشن سپر ہیرو فلم سیریز ’اسپائیڈر مین‘ کے یوں تو متعدد سیکوئل اور سیریز بن چکی ہیں، تاہم گزشتہ برس اس سیریز کی پہلی اینیمیٹڈ فلم ریلیز کی گئی تھی۔

’اسپائیڈر مین‘ سیریز کی گزشتہ برس ریلیز کی گئی پہلی اینیمیٹڈ فلم ’اسپائیڈر مین: ان ٹو دی اسپائیڈر ورس‘ نے جہاں ریکارڈ کمائی کی تھی، وہیں فلم آسکر ایوارڈ جیتنے میں بھی کامیاب گئی تھی۔

’اسپائیڈر مین: ان ٹو دی اسپائیڈر ورس‘ کو اینمیٹڈ فلم کی کیٹیگری میں آسکر ایوارڈ دیا گیا تھا اور فلم نے دنیا بھر سے 45 ارب روپے سے زائد کی کمائی کی تھی۔

یہ خیال تو پہلے ہی کیا جا رہا تھا کہ اس کا سیکوئل بنایا جائے گا، تاہم اب کمپنی نے اس کی تصدیق بھی کردی۔

خبر رساں ادارے ’ایسوسی ایٹڈ پریس‘ (اے پی) کے مطابق فلم پروڈکشن ہاؤس ’سونی‘ اور ’ماررول‘ نے ’اسپائیڈر مین: ان ٹو دی اسپائیڈر ورس‘ کا سیکوئل بنانے کی تصدیق کردی۔

اینیمیٹڈ فلم کی کہانی پر سائنس فکشن فلم کی طرح رکھی گئی تھی—اسکرین شاٹ
اینیمیٹڈ فلم کی کہانی پر سائنس فکشن فلم کی طرح رکھی گئی تھی—اسکرین شاٹ

رپورٹ کے مطابق ’اسپائیڈر مین: ان ٹو دی اسپائیڈر ورس‘ کا سیکوئل 2022 میں ریلیز کیا جائے گا اور سیکوئل فلم کو بھی فل لارڈ اور کرسٹوفر ملر پروڈیوس کریں گے۔

ابھی یہ واضح نہیں ہے کہ سیکوئل فلم کی ہدایت کاری کون دے گا، تاہم 2018 میں ریلیز ہونے والی فلم کی ہدایت کاری پیٹر ریمزے، رودنی روتھمین اورباب پرسیچیٹی نے دی تھی۔

’اسپائیڈر مین‘ سیریز کی اس پہلی اینیمیٹڈ فلم کی کہانی بھی سائنس فکشن سپر ہیرو فلم جیسی رکھی گئی تھی، جس میں پیٹر پارکر نامی بچے کو مختلف صلاحیتوں کے ساتھ دکھایا گیا تھا۔

پیٹر پارکر نامی بچے نے ہی اسپائیڈر مین کا کردار ادا کیا تھا جو کسی مکڑی کی طرح بلند و بالا عمارتوں پر سیکنڈوں کے اندر چڑھ جاتا ہے۔

فلم میں مختلف صلاحیتوں کے مالک بچے کو متعدد برائیوں اور خراب لوگوں کے ساتھ لڑتے ہوئے دکھایا گیا تھا۔

اب اسی فلم کا سیکوئل بھی بنایا جائے گا، جس کی کہانی ممکنہ طور پر وہیں سے شروع کی جائے گی جہاں پر پہلی فلم کی کہانی ختم ہوئی تھی۔

رابی پیرزادہ کا نازیبا ویڈیوز کیخلاف ایف آئی اے سے رابطہ

لاہور: گلوکارہ رابی پیرزادہ نے سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی اپنی نازیبا ویڈیوز کے خلاف ایف آئی کے سائبر کرائم ونگ سے رابطہ کرلیا۔

گزشتہ روز رابی پیرزادہ کی نازیبا اور غیر اخلاقی ویڈیوز سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی تھیں جس کے باعث رابی پیرزادہ دیکھتے ہی دیکھتے ٹوئٹر پر ٹاپ ٹرینڈ بن گئیں۔

سوشل میڈیا پر کئی صارفین نے ویڈیوز لیک ہونے کے باعث انہیں تنقید کا نشانہ بنایا جب کہ بہت سے لوگ ان کی حمایت میں آگے آئے ۔ رابی پیرزادہ نے اپنی لیک ہونےو الی ویڈیوز کے خلاف فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی(ایف آئی اے)کے سائبر کرائم ونگ میں درخواست دائر کی ہے جس میں انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ تحقیقات کی جائیں کہ ان کی ویڈیوز کس نے لیک کیں۔

رابی پیرزادہ نے مزید کہا کہ انہوں نے اپنے موبائل فون میں کچھ خرابی آنے کے باعث اسے ٹھیک کرنے کے لیے دیا تھا اور کسی نے ان کے موبائل فون سے ان کی ویڈیوز اورتصاویر چرا کر انہیں سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کردیا۔ رابی نے ایف اے سے ان کی ویڈیوز کو سوشل میڈیا سے ہٹانے کی بھی درخواست کی ہے۔

رابی پیرزادہ کا وزیراعظم سےشیخ رشید کو برطرف کرنے کا مطالبہ

کراچی: پاکستانی گلوکارہ رابی پیرزادہ نے سانحہ تیزگام پراظہار افسوس کرتے ہوئے وزیراعظم سے وزیرریلوے شیخ رشید کو عہدے سے برطرف کرنے کا مطالبہ کردیا۔

گزشتہ روز رحیم یار خان کے قریب پیش آنے والے ٹرین حادثے میں 74 افراد جان کی بازی ہار گئے تھےجب کہ متعدد افراد زخمی ہیں۔ سانحہ تیزگام پر نہ صرف پورا پاکستان سوگ میں ہے بلکہ فنکار برادری نے بھی نہایت افسوس کا اظہار کیا ہے۔

گلوکارہ رابی پیرزادہ نےسانحہ تیزگام پر غم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا عمران خان جب اپوزیشن میں تھے تو اس وقت جب بھی کوئی ٹرین حادثہ ہوتا تھا تو عمران خان کا مطالبہ ہوتاتھا وزیر ریلوے کا استعفیٰ۔ اور اب تقریباً 80 کے قریب ریلوے کے حادثات ہوچکے ہیں لیکن ابھی تک استعفیٰ نہیں آیا۔

رابی پیرزادہ نےمزید  لکھا آج میرادل رو رہاہے جو کچھ اس ٹرین کے مسافروں کے ساتھ ہوا۔ جب میں عمران خان سے سوال کرتی ہوں آپ لوگوں کو برا لگتا ہے۔ کیا حاکم وقت کی ذمہ داری نہیں کہ شیخ رشید کو برطرف کریں۔ یا یہ واقعہ بھی ہمیشہ کی طرح دبا دیاجائے گا۔

رابی پیرزادہ کے علاوہ شوبز انڈسٹری کے دیگر فنکاروں نے بھی سانحہ تیزگام ایکسپریس پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔

اداکارہ و میزبان جگن کاظم نے جلتی ہوئی ٹرین کی تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ ان کی دعائیں اس المناک حادثے میں متاثر ہونےو الے افراد اوران کے اہلخانہ کے ساتھ ہیں۔ خدا تمام لوگوں کو اپنی امان میں رکھے آمین۔

اداکارہ مہوش حیات نے بھی ٹوئٹر پر سانحہ تیزگام پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا۔ تیزگام حادثے میں جاں بحق ہونے والوں کےلیے دعائے مغفرت اور (لواحقین سے) تعزیت کی۔ سانحہ کی سنگینی میں اس حقیقت کو بھی مدنظر رکھنا چاہیئے کہ اگر (مسافروں کے) سامان کی مناسب تلاشی لے لی جاتی تو اس حادثے سے بچا جاسکتا تھا۔ گیس سلنڈر، جو ممنوعہ سامان میں شامل ہے، اسے ساتھ رکھنے کی اجازت کیسے دے دی گئی۔ تحفظ و احتیاط کو ہر صورت میں فوقیت دینی چاہیے۔

سانحہ تیزگام پر اظہار یکجہتی: کوک اسٹوڈیو نے تیسری قسط روک دی

سانحہ تیزگام کے لواحقین سے اظہار یکجہتی کرتے ہوئے کوک اسٹوڈیو نے سیزن 12 کی تیسری قسط کی ریلیز  روک دی۔

اب تک کوک اسٹوڈیو سیزن 12 کی دو اقساط ریلیز ہو چکی ہیں اور آج  اس کی تیسری قسط کو ریلیز ہونا تھا لیکن کوک اسٹوڈیو کی انتظامیہ نے سانحہ تیزگام کے لواحقین کے دکھ میں شریک ہوتے ہوئے اس کی ریلیز  منسوخ کر دی ہے۔

کوک اسٹوڈیو نے ایک ٹوئٹ کے ذریعے سانحہ تیزگام کا شکار ہونے والے خاندانوں سے اظہار تعزیت کرتے ہوئے رنج و غم کا اظہار کیا۔

کوک اسٹوڈیو سیزن 12 کی آج تیسری قسط میں گلوکار عاطف اسلم اور بلوچی بینڈ بنور کا ’مبارک مبارک‘ ریلیز ہونا تھا۔

ٹوئٹ میں بتایا گیا کہ سانحہ تیزگام میں متاثر ہونے والے اہل خانہ کے ساتھ اظہار یکجہتی کرتے ہوئے کوک اسٹوڈیو سیزن 12 کی تیسری قسط آج ریلیز نہیں ہوگی۔

Coke Studio

@cokestudio

In solidarity with the families affected by the Tezgam train tragedy, Coke Studio Season 12 Episode 3 will not be releasing today.

Embedded video

341 people are talking about this

کوک اسٹوڈیو انتظامیہ نے کہا کہ ہماری دعائیں ان تمام خاندانوں اور  ہر اس فرد کے ساتھ ہیں جو اس حادثے میں متاثر ہوئے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز  رحیم یار خان کے قریب کراچی سے راولپنڈی جانے والی تیز گام ایکسپریس میں آتشزدگی کے باعث 74 افراد جاں بحق اور متعدد زخمی ہو گئے تھے۔

Google Analytics Alternative