انٹر ٹینمنٹ

ہراسانی کیس؛ عینی شاہد نے علی ظفر پر میشا شفیع کے الزام کو جھوٹ قرار دے دیا

لاہور: سیشن عدالت میں گلوکارہ میشا شفیع کے خلاف ہتک عزت کے دعوی پر سماعت کے دوران علی ظفرکی گواہ اور عینی شاہد ماڈل کنزہ منیر نے میشا شفیع کے الزامات کو جھوٹ قراردے دیا۔

لاہور کی سیشن عدالت میں گلوکارعلی ظفر کی جانب سے میشاشفیع کےخلاف ہتک عزت کے دعوی پر سماعت ہوئی، ایڈیشنل سیشن جج امجد علی شاہ نے کیس کی سماعت کی، عدالت میں ادکار علی ظفر کی جانب سے ماڈل کنزہ منیر کی شہادت قلمبند کی گئی۔

کنزہ منیر نے بیان دیتے ہوئے کہا میں نجی اسٹوڈیو میں موجود تھی جہاں میشا شفیع نے علی ظفر پر ہراساں کرنے کا الزام عائد کیا، اسٹوڈیو میں کنسرٹ کی ریہرسل چل رہی تھی، 10 سے 11 لوگ ریہرسل میں موجود تھے، 45 منٹ تک ریہرسل اسٹوڈیو میں جاری رہی، میشا شفیع جب اسٹوڈیو پہچی تو علی ظفر کو گلے سے لگا کر سلام کیا، ریہرسل کا عمل مکمل ہونے کے بعد میشا شفیع نے علی ظفر کو بائے بائے بھی اس طرح کہا۔ کنزہ منیر نے کہا ریہرسل کے درمیان ویڈیو بھی بن رہی تھی، دونوں گانے کے دوران 4 سے 5 فٹ دور کھڑے تھے میشا شفیع کے الزامات کا اچھی طرح علم ہے وہ جھوٹ ہیں۔

درخواست گزار علی ظفر کا کہنا تھا کہ میشا شفیع نے جنسی ہراساں کرنے سے متعلق بے بنیاد الزامات عائد کیے لہٰذا عدالت میشا شفیع کو سو کروڑ روپے ہرجانہ ادا کرنے کا حکم جاری کرے۔ عدالت نے آئندہ سماعت پر مزید گواہان کو شہادت کے لیے طلب کرتے ہوئے سماعت 18 مئی تک ملتوی کردی۔

واضح رہے کہ میشا شفیع نے 4 مئی کو علی ظفر کے ہتک عزت کے دعوی پر سماعت کرنے والے جج پر جانبداری کا الزام لگاتے ہوئے کیس کو دوسرے جج کے پاس ٹرانسفر کرنے کی درخواست کی تھی، جس پر سیشن عدالت نے میشا شفیع کی درخواست منظور کرتے ہوئے ہتک عزت کے دعوی کو ایڈیشنل سیشن جج امجد علی شاہ کی عدالت میں ٹرانسفر کرنے کا حکم دیا تھا۔

کیس کا پس منظر

گلوکارہ میشا شفیع نے گزشتہ برس علی ظفر پر جنسی ہراسانی  کا الزام لگایا تھا جس کے جواب میں علی ظفر نے میشا شفیع کے الزامات کو جھوٹا اور بے بنیاد قرار دیتے ہوئے ان پر ہتک عزت کا دعویٰ دائرکرتے ہوئے انہیں 100 کروڑ کا لیگل نوٹس بھجوایاتھا۔

سندھ ہائیکورٹ کا فلم ’دی لیجنڈ آف مولاجٹ‘ کو بدنام کرنے سے روکنے کا حکم جاری

کراچی: عدالت نے فلم ’دی لیجنڈ آف مولاجٹ‘ اور اس کے پروڈیوسرز کو بدنام کرنے سے روکنے کا حکم جاری کیا ہے۔

پاکستانی سپراسٹار فواد خان اورماہرہ خان کی فلم ’دی لیجنڈ آف مولاجٹ‘ اپنے اعلان کے بعد سے ہی مسلسل تنازعات کا شکار ہے۔ فلم کے پروڈیوسرز بلال لاشاری اور عمارہ حکمت فلم کے آغاز سے ہی 1979 میں ریلیز ہوئی ’مولاجٹ‘ کے پروڈیوسرز کی جانب سے کاپی رائٹ کی خلاف ورزی کے الزامات کا شکارہیں۔

فلم ’دی لیجنڈ آف مولاجٹ‘ رواں سال عید الفطر کے موقع پر ریلیز کی جانی تھی لیکن مختلف تنازعات کے باعث فلم کے پروڈیوسرز نے ریلیز کی تاریخ آگے بڑھادی ہے۔ اوریجنل فلم ’مولاجٹ‘ کے پروڈیوسرز سرور بھٹی اور ’دی لیجنڈآف مولاجٹ‘ کے پروڈیوسرز بلال لاشاری اور عمارہ حکمت کے درمیان جنگ عدالت تک پہنچ چکی ہے۔ کچھ عرصہ قبل لاہور ہائی کورٹ نے نوٹس جاری کرتے ہوئے کہا تھا کہ فلم کے خلاف کوئی حکم امتناعی جاری نہیں ہوا ہے۔

’دی لیجنڈ آف مولاجٹ‘کی پروڈیوسرعمارہ حکمت کے ٹوئٹ کے مطابق اب سندھ ہائی کورٹ نے اوریجنل ’مولاجٹ‘ کے پروڈیوسرز یعنی مسٹر بھٹی اور ان کے ساتھیوں کے خلاف حکمِ امتناعی جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ’دی لیجنڈ آف مولاجٹ‘ اور اس کے فلم سازوں کو بدنام کرنے سے باز رہیں۔

واضح رہے کہ 1979 میں فلم ’مولا جٹ‘ ریلیز ہوئی تھی جس نے نہ صرف کامیابی کے نئے ریکارڈ قائم کیے تھے بلکہ فلم کو آج تک پاکستان فلم انڈسٹری کی کامیاب ترین فلم قرار دیا جاتا ہے، اسی کو مدنظر رکھتے ہوئے نامور ہدایت کار بلال لاشاری نے فلم کا سیکوئل ’دی لیجنڈ آف مولا جٹ‘ بنانے کا فیصلہ کیا جس میں اداکارہ ماہرہ خان، فواد خان اور حمزہ علی عباسی مرکزی کردار ادا کررہے ہیں، تاہم  کاپی رائٹ قانون کی خلاف ورزی پر فلم کی نمائش کو چیلنج کیا گیا ہے۔

اسٹاف سے بدسلوکی پر عامر لیاقت پی ٹی وی سے باہر؟

متعدد تنازعات کا شکار رہنے والے تحریک انصاف کے رہنما اور ٹی وی اینکر ڈاکٹر عامر لیاقت حسین رواں سال پی ٹی وی پر رمضان نشریات کی میزبانی کر رہے ہیں، تاہم اب ایسی افواہیں سامنے آرہی ہیں کہ انہیں پی ٹی وی کی رمضان ٹرانسمیشن سے نکال دیا گیا۔

پاکستان میں رمضان ٹرانسمیشنز متعارف کرانے والے عامر لیاقت رواں سال پی ٹی وی کی رمضان نشریات ’ہمارا رمضان‘ کی میزبانی کر رہے تھے، تاہم گزشتہ روز وہ لائیو افطار ٹرانسمیشن درمیان میں ہی چھوڑ کر سیٹ سے چلے گئے۔

عامر لیاقت چوتھے روزے کی افطاری ٹرانسمیشن کے دوران وزیر اعظم عمران خان کی تعریف کی جس کے بعد انہوں نے کہا کہ عامر لیاقت حسین کا سفر یہیں پر اختتام پذیر ہوتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ’عامر لیاقت حسین کو اس رمضان ٹرانسمیشن سے اجازت دیجیئے‘۔

بعدازاں ایسی افواہیں سامنے آئیں کہ عامر لیاقت کو چینل کے اسٹاف اور مینجمنٹ کے ساتھ نامناسب رویے کے باعث ٹرانسمیشن سے نکال دیا گیا۔

عامر لیاقت اس سے قبل اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر بھی ایسی ٹویٹس کررہے تھے جن سے وہ پریشان نظر آئے تاہم انہوں نے اس دوران اپنی پریشانی کی وجہ نہیں واضح کی۔

ٹی وی اینکر آج بھی سحری کے دوران ٹرانسمیشن کا حصہ نہیں بنے، جس کے باعث ان کے پی ٹی وی سے نکالے جانے کی افواہوں میں مزید اضافہ ہوگیا۔

تاہم اب عامر لیاقت نے ایک نئی ٹویٹ میں بتایا کہ وہ طبیعت خراب ہونے کے باعث سحری ٹرانسمیشن کا حصہ نہیں بن پائے تھے۔

صارفین سے ایک ٹویٹ کے ذریعے معافی مانگتے ہوئے عامر لیاقت نے لکھا کہ ’پی ٹی وی نیوز کے ناظرین ان شا اللہ افطار نشریات سے مجھے دیکھ سکیں گے، طبیعت ناساز ہے اس لیے ابھی سحری میں نہیں آسکا، ناظرین سے معذرت خواہ ہوں‘۔

یاد رہے کہ پی ٹی وی سے قبل عامر لیاقت حسین جیو نیوز، اے آر وائے اور بول پر بھی رمضان نشریات کی میزبانی کرچکے ہیں۔

اس سے قبل بھی عامر لیاقت کے حوالے سے متعدد تنازعات سامنے آچکے ہیں۔

خیال رہے کہ 2016 میں پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی (پیمرا) نے عامر لیاقت کےجیو انٹرٹینمنٹ کے پروگرام ‘انعام گھر’ پر تین روز کی عارضی پابندی عائد کر دی تھی۔

عامر لیاقت حسین نے ایک پروگرام کے دوران ‘خودکشی کے مناظر’ دکھائے تھے جس پر چینیل کو پیمرا نے نوٹس جاری کردیا تھا۔

’ایوینجرز نے میری ٹائیٹینک ڈبو دی‘

مارول اسٹوڈیوز کی فلم ’ایوینجرز: دی اینڈ گیم‘ نے دنیا بھر میں کامیابی حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ ہولی وڈ کی سب سے کامیاب فلم ’ٹائیٹینک‘ کو بھی پیچھے چھوڑ کر صرف مداحوں کو نہیں بلکہ ٹائیٹینک کے ہدایت کار جیمز کیمرون کو بھی حیران کردیا۔

فلم ساز جیمز کیمرون کی فلم ٹائیٹینک کا ورلڈ وائڈ بزنس توڑنے کے ساتھ ساتھ ایوینجرز نے اس فلم کو سب سے کامیاب فلموں کی فہرست میں تیسری پوزیشن پر پہنچادیا جبکہ خود دوسری پوزیشن حاصل کرلی۔

اس کے باوجود بھی جیمز کیمرون نے ایوینجرز کی ٹیم کو ہدایت کار کو ان کی فلم کا ریکارڈ توڑنے پر نہایت منفرد انداز میں مبارکباد دی۔

اپنی ایک ٹویٹ میں جیمز کیمرون نے لکھا کہ ’مارول کی پوری ٹیم اور کیون فیج (ہدایت کار) نے دنیا کو دکھادیا کہ فلم انڈسٹری پہلے سے کتنی بڑی ہوچکی ہے‘۔

انہوں نے مزید لکھا کہ ’ایک برف کی چٹان نے ٹائیٹینک کو ڈبویا، لیکن میری ٹائیٹینک کو صرف ایوینجرز ڈبو سکے‘۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ سب سے کامیاب فلموں کی فہرست میں پہلے نمبر پر بھی جیمز کیمرون کی فلم ’اواتار‘ موجود ہے جس نے 2 ارب 80 کروڑ ڈالرز کمانے کا ریکارڈ بنایا تھا جو لگ بھگ 10 برسوں سے ناقابل شکست ثابت ہورہا تھا۔

فلم ’ایوینجرز: دی اینڈ گیم‘ اب تک 2 ارب 30 کروڑ ڈالر کما چکی ہے۔

فواد خان پاکستان کے اگلے سپرہیرو؟

کراچی: نامورپاکستانی اداکار فواد خان کی ایک تصویرسوشل میڈیا پرگردش کررہی ہے جس میں وہ سپر ہیرو کے روپ میں نظر آرہے ہیں۔

اداکارہمایوں سعید، سائرہ شہروز اورشہریارمنور کی رواں سال ریلیز ہونے والی فلم ’پراجیکٹ غازی‘ کو پاکستان کی پہلی سپرہیرو فلم قرار دیا گیا تھا اور اب یہ سلسلہ رکنے والا نہیں ہے، پاکستان کے ناموراداکار فواد خان کے بارے میں خبریں گردش کررہی ہیں کہ وہ پاکستانی فلم انڈسٹری کےاگلے سپر ہیرو بنیں گے۔

سوشل میڈیا پرفواد خان کی ایک  تصویر گردش کررہی ہے جس میں وہ سپرہیروکے لباس میں نظرآرہے ہیں اس تصویرکو اسٹائلسٹ شمل قریشی نے ’سپرہیرو‘ کے ہیش ٹیگ کے ساتھ اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ پرشیئرکرایا ہے۔

شمل قریشی کے تصویرشیئر کرانے کے بعد سوشل میڈیا پرخبریں گردش کررہی ہیں کہ فواد خان اگلی فلم میں سپرہیرو کے روپ میں نظر آسکتے ہیں۔

واضح رہے کہ فواد خان کی فلم’دی لیجنڈ آف مولا جٹ‘کا انتظار شائقین بے چینی سے کرر ہے ہیں تاہم فلم کی ریلیز قانونی پیچیدگیوں کے باعث تاخیر کا شکار ہوگئی ہے۔

عیدالفطر کے موقع پر فلموں کی نمائش کے حوالے سے سینما مالکان کشمکش کا شکار

لاہور: عیدالفطر کے موقع پر فلموں کی نمائش کے حوالے سے  سینما مالکان کشمکش کا شکار ہونے لگے۔

پروڈکشن ہاؤسز اور نجی چینلز کے بینر تلے بننے والی فلموں کو زیادہ سے زیادہ شو دینے کیلئے جہاں تعلقات کا استعمال ہو رہا ہے وہیں سینما گھروں کو زیادہ رقم ادا کرنے کی پیشکش بھی کی جارہی ہے۔ ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ عیدالفطر کے موقع پر بھارتی فلموں کی نمائش نہ ہونے کی وجہ پاکستانی فلم میکرز نے جہاں اعلی معیار کی فلمیں بنانے کے دعوے کیے ہیں وہیں اب فلموں کی پروموشن بھی شروع ہوچکی ہے۔

مجموعی طور پر اس وقت ملک بھر میں جدید ٹیکنالوجی سے آراستہ سینما گھروں کی تعداد 100 کے قریب ہے لیکن ان میں نمائش کیلئے پیش کی جانے والی فلموں کی تعداد انتہائی کم ہے۔ عیدالفطر پر نمائش کیلئے پیش کی جانے والی فلموں میں اب تک پانچ فلمیں بتائی جاتی ہیں جبکہ مزید فلمیں عید دنگل کا حصہ بن سکتی ہیں۔

دوسری جانب پشتو، سرائیکی اور پنجابی سمیت علاقائی فلمیں بھی عید کے موقع پر نمائش کیلئے  پیش کی جا سکتی ہیں۔ اس حوالے سے فلم کے سنجیدہ حلقوں کا کہنا ہے کہ یہ بہت خوش آئند بات ہے کہ عید الفطر کے موقع پر کسی غیر ملکی فلم کو نمائش کیلئے پیش نہیں کیا جائے گا لیکن اس کے ساتھ ساتھ یہ زیادہ تکلیف دے امر ہوگا کہ بہت سے فلم میکرز نے اپنی فلمیں بنا کر عید الفطر پر نمائش کا فیصلہ کرلیا ہے جس سے کاروباری منافع ہونے کے بجائے نقصان کے خدشات بڑھ گئے ہیں۔

یہی وجہ ہے کہ سینما مالکان بھی اس بات کا فائدہ اٹھانا چاہتے ہیں۔ اب وہ یہ دیکھ رہے ہیں کہ جس فلم سے انہیں زیادہ منافع حاصل ہوگا اسی کو اپنے سینماگھروں میں نمائش کے ساتھ  اسے پرائم ٹائم میں زیادہ شو دییے جائیں گے۔ اس حوالے سے کچھ پروڈیوسروں کے معاملات پہلے ہی طے پا چکے ہیں جبکہ کچھ کے معاملات حتمی مراحل میں داخل ہیں۔

اظفر رحمان فلم ’چھلاوا‘ سے متعلق بول پڑے

لاہور: فلم ’چھلاوا‘ میں مہوش حیات کے ساتھ مرکزی کردار ادا کرنے والے معروف اداکار اظفر رحمان فلم سے متعلق بول پڑے۔

اداکار اظفر رحمان نے ایک ویب سائٹ کو دیئے گئے انٹرویو میں بتایا کہ فلم ’چھلاوا‘ لڑکا ،لڑکی اور ظالم سماج پر مبنی ایک رومانوی کہانی سے بھرپور فلم ہے۔ فلم میں یہ دکھایا گیا ہے کہ کس طرح یہ جوڑی جدو جہد کرکے اپنی فیملی کو شادی کے لئے مناتے ہیں۔

اظفر رحمان نے بتایا کہ اس فلم میں موسیقی ، تفریح، طنز و مزاح اور رقص سارے ہی تڑکے ہیں۔جب کہ فلم میں میرا کردار میری اصلی زندگی سے قریب تر ہوں یعنی فلم میں سمیر ایک پر جوش اور جذباتی انسان ہے۔ اگر وہ خوش ہے تو وہ خوش رہے گا اور اگر وہ دکھی ہے تو یہ بُری طرح جھگڑا لو ہو جاتا ہے۔ میرا یہ کردار بہت سی شخصیت پر مشتمل ہے۔ اور اس کردار کو ادا کرنے میں میرا بہت اچھا وقت گزرا۔

واضح رہے کہ وجاہت رؤف کی ہدایتکاری میں بننے والی فلم ’چھلاوا‘ میں نامور اداکارہ مہوش حیات اور اظفر رحمان مرکزی کردار ادا کررہے ہیں۔ فلم رواں سال عید الفطر پر سنیما گھروں کی زینت بنے گی۔

پاکستانی پرچم تھامے راکھی ساونت کی تصاویر پر نیا تنازع

بولی وڈ اداکارہ راکھی ساونت ہمیشہ ہی کسی نہ کسی تنازع کی وجہ سے خبروں میں ان رہتی ہیں اور اب ان کی چند نئی تصاویر سامنے آنے کے بعد سوشل میڈیا پر نئی بحث کا آغاز ہوگیا۔

راکھی ساونت چند روز قبل اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر تصاویر شیئر کیں، جس میں وہ پاکستانی پرچم کے ساتھ موجود ہیں۔

اداکارہ نے کچھ روز قبل بھی پاکستانی جھنڈے کے ساتھ ایک تصویر شیئر کی تھی —فوٹو/ اسکرین شاٹ
اداکارہ نے کچھ روز قبل بھی پاکستانی جھنڈے کے ساتھ ایک تصویر شیئر کی تھی —فوٹو/ اسکرین شاٹ

ان تصاویر میں اداکارہ بیلی ڈانس کے دوران پہنا جانے والا لباس زیب کیا ہوا ہے، جبکہ انہوں نے اپنے ہاتھوں میں پاکستانی جھنڈا تھاما ہوا ہے۔

اداکارہ کی تصاویر شیئر کرنے کے بعد ان کے بھارتی مداحوں اور فالوورز نے انہیں شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔

کسی نے اداکارہ کی تصاویر پر تبصرہ کیا کہ وہ بھارت میں پاکستانی فنکاروں پر لگی پابندی کے خلاف آواز اٹھا رہی ہیں، جبکہ کسی نے کہا کہ وہ اپنے ملک کے ساتھ غداری کررہی ہیں۔

بعدازاں راکھی ساونت نے خود پر ہونے والی تنقید کے حوالے سے وضاحت بھی کی۔

راکھی کا کہنا تھا کہ وہ اپنے ملک بھارت سے محبت کرتی ہیں، اور یہ تصاویر ان کی آنے والی فلم ’دھارا 370‘ کی ہیں، جس میں وہ ایک پاکستانی لڑکی کا کردار نبھارہی ہیں۔

بعدازاں اداکارہ نے اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر ایک ویڈیو بھی شیئر کی۔

اپنی ویڈیو میں راکھی کا کہنا تھا کہ ’میں اس فلم میں ایک پاکستانی لڑکی کا کردار نبھا رہی ہوں، پاکستانی لوگوں کے سینے میں بھی دل ہوتا ہے، بہت پیارے ہوتے ہیں، سب برے نہیں ہوتے، میں پاکستان کی بہت عزت کرتی ہوں‘۔

خیال رہے کہ بھارتی آئین کی دفعہ 370 ایک خصوصی دفعہ ہے جو ریاست جموں و کشمیر کو جداگانہ حیثیت دیتی ہے.

راکھی ساونت کی فلم کی کہانی اس ہی پر مبنی ہے

Google Analytics Alternative