صحت

بھارت میں زیکا وائرس، مریض صحتیاب ہوگئے، عالمی ادارہ صحت

عالمی ادارہٴ صحت کے مطابق ان3 میں2 حاملہ خواتین تھیں، جنہوں نے بعد میں صحت مند بچوں کو جنم دیا تھا۔ ان تینوں زیکا وائرس کے مریضوں کے بارے میں بھارت نے عالمی ادارہٴ صحت کو رواں برس15 مئی کو مطلع کیا تھا۔

بھارتی محکمہٴ صحت نے بتایا ہے کہ زیکا وائرس میں مبتلا تینوں مریض اب پوری طرح صحت یاب ہو چکے ہیں۔ یہ امر اہم ہے کہ سن 2015 میں زیکا وائرس برازیل اور قریبی ہمسایہ ملکوں میں وبا کی طرح پھیل گیا تھا۔

اچھا روزہ گزارنا چاہتے ہیں تو ان 6 باتوں پر عمل کریں

ماہرین صحت کے مطابق رمضان المبارک کے دوران روزے دار کا کھانے پینے کا نظام تبدیل ہوجاتا ہے، لہذا یہ ضروری ہے کہ سحر و افطار دونوں اوقات میں احتیاط برتیں اور زیادہ کھانے سے پرہیز کریں اور پروٹین اور  کاربوہائیڈریٹ سے بھرپور غذا کا استعمال کرنے کے ساتھ یہ احتیاطی تدابیر اختیار کریں۔

سحری میں شوربے والے سالن کا استعمال:

ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ زیادہ مصالحے دار اور مرغ مسلم کھانے سینے کی جلن اور پیاس لگنے کا باعث بنتے ہیں اس لئے سحری میں شوربے والے سالن کا استعمال کریں جس میں تیل اور مصالحہ کم ہو اور جو باآسانی ہضم ہوسکے۔

سحری میں اختتام وقت سے قبل بیدار ہونا:

ماہر صحت روزے داروں کو مشورہ دیتے ہیں کہ سحری میں وقت سے قبل بیدار ہوں تاکہ وقت کم ہونے کی وجہ سے بے صبری اور جلدی جلدی میں نہ کھانا پڑے، جلد بازی میں چیزیں کھانے سے بدہضمی یا قے ہونے کا اندیشہ بڑھ جاتا ہے اس لئے جلد نیند سے بیدار ہونے سے پرسکون انداز میں سحری کی جاسکتی ہے۔

افطار کے وقت کی خوراک:

افطار کے وقت کھجور اور پھل کا زیادہ استعمال کیا جائے اور فوراً پانی نہ پیا جائے، گرمی کے باعث افطار میں آم اور کھجور کے ملک شیک یا دیگر مشروبات بھی استعمال کئے جاسکتے ہیں۔

پانی کا زیادہ استعمال:

سخت گرمی کے موسم میں جسم کو پانی کی ضرورت رہتی ہے اس لیے پانی کی کمی پوری کرنے کے لئے ایک ساتھ ایک دو لیٹر پانی پینے سے گریز کریں، اور وقفے وقفے سے پانی پئیں جو پیاس بجھانے کے ساتھ پانی کی طلب کو پورا کرے گا۔

دن میں نیند :

جسم میں توانائی برقرار رکھنے کے لئے کوشش کریں کہ دن میں براہ راست دھوپ میں نہ نکلیں اور مشقت والا کام نہ کریں۔ اگر روزے دار کے لئے ممکن ہو کہ دن میں ایک سے 2 گھنٹہ نیند ضرور کریں جو جسم کو چست رکھنے کا باعث بنتا ہے۔

جنک فوڈز اور چائے کافی:

ماہرین کا کہنا ہے کہ افطار میں سافٹ ڈرنکس، جنک فوڈز، چائے، کافی وغیرہ کا استعمال نہ کریں ۔

بلڈپریشر کے شکار افراد کے لئے :

جن لوگوں کا بلڈ پریشر روزے کے دوران کم ہو جاتا ہے انہیں چاہیے کہ وہ پیروں کو سیدھا کرکے لیٹ جائیں اور دس منٹ کے لیے پیروں کو اوپر کر لیں۔ اگر ایک ساتھ دس منٹ تک نہیں کر سکتے تو دو دو منٹ کے وقفے سے یہ مشق کریں، اس مشق سے دماغ کو خون کی فراہمی بحال ہوجائے گی اور بلڈپریشر قابو میں رہے گا۔

لال مرچ کھائیے، بیماریوں سے نجات پائیے

واشنگٹن: سرخ مرچ ہمارے کھانوں میں عام استعمال ہوتی ہے جب کہ مغربی ماہرین اسے اپنے کھانوں میں زیادہ سے زیادہ استعمال کرانے کے خواہش مند ہیں کیونکہ اب اسے بھی ’سپرفوڈ‘ قرار دیا جارہا ہے۔

یونیورسٹی آف ورمونٹ کے ماہر مصطفیٰ شوپان ایک عرصے سے سرخ مرچ پر تحقیق کررہے ہیں اور ان کے سروے کے دوران جن افراد نے سرخ مرچ کا استعمال زیادہ کیا، ان میں دیگر افراد کے مقابلے میں ناگہانی موت کی شرح کم دیکھی گئی۔

مصطفیٰ شوپان کے مطابق سرخ مرچ میں موجود ایک اہم عنصر کیپسی سیئن بدن کے اندر جلن اور سوزش کو کم کرتا ہے۔ اس سے قبل کئی اہم مشاہدات میں دیکھا گیا ہے کہ سرخ مرچ امراضِ قلب کو دور کرتی ہے۔ اس کے علاوہ یہ ذیابیطس کو قابو میں رکھنے اور وزن کم کرنے میں بھی اہم کردار ادا کرتی ہے۔

بعض تحقیقات سے معلوم ہوا ہے کہ کیپسی سیئن پروسٹیٹ کینسر کو پھیلنے سے روکتا ہے جو لال مرچ کا اہم جزو بھی ہے۔ ایک اور تحقیق سے انکشاف ہوا کہ سرخ مرچ عمر بڑھاتی ہے۔

غذائی ماہرین پسی ہوئی سرخ مرچوں کو صحت کے لیے بہت ضروری قرار دیتے ہوئے کہتے ہیں کہ ان میں وٹامن ای، وٹامن اے، فائبر، پوٹاشیئم اور دیگر اہم اجزا پائے جاتےہیں۔ اس کے علاوہ کیپسی سیئن جسم کے قدرتی دفاعی نظام کو بہتر بناتی ہے  اور معدے کے زخم اور بدہضمی کو بھی دور کرتی ہے۔

روزے سے ذہنی تناؤ میں کمی ہوتی ہے

ایسے مریضوں کواپنے معالجین سے مشورہ کرکے اپنی ادویات کے اوقات کار میں تبدیلی لازمی ہوگی،تاہم شوگر کی حاملہ خواتین، شوگر کے مریض جو ڈائیلسس پر ہوں اور شوگر کہ مرض میں مبتلا عمرہ رسیدہ اور محنت کش (مزدور) افراد ہائی رسک گروپ میں شامل ہیں۔

انہیں روزے رکھنے کیلئے انتہائی احتیاط کی ضرورت ہوگی اور ان چاروں گروپس کے افراد روزے رکھنے کیلئے اپنے اپنے معالجین سے مشورہ بھی کرنا ہوگا۔

نارمل شوگر کے مریض روزے رکھ سکتے ہیں افطار اور سحری کے درمیان کم ازکم پانی کے 10گلاس پینا چاہئے۔ افطار و سحری میں دہی کا استعمال انتہائی مفید ہوگا، سحری میں ایک پھل کھا سکتے ہیں، شوگر کے مریض تلی ہوئی اشیاء کھجلا پھینی سے بھی پرہیزکریں۔

ان کا کہنا تھا کہ روزے رکھنے سے ذہنی وقلبی سکون ملتا ہے، جبکہ ذہنی تناؤ میں بھی نمایاں کمی واقع ہوتی ہے۔ انھوں نے کہاکہ روزہ صحت کیلیے بہترین ہے، رمضان میں تراویح پڑھنے والوں کوکسی اور ورزش کی ضرورت نہیں ہوتی۔

دن میں روزے کے دوران 2بار خون میں شوگرکی مقدارکو بھی چیک کرسکتے ہیں۔ خون میں شوگر کی سطح معلوم کرنے کیلئے 24گھنٹے میں 3بار شوگر چیک کی جاسکتی ہے۔

سکھر: گیسٹرو مرض تیزی سے پھیلنے لگا، اسپتالوں میں 30مریض داخل

متاثرین میں زیادہ تعدادخواتین اور بچوں کی ہے۔ سکھر، پنوعاقل، کندھرا، صالح پٹ، علی واہن، سنگرار، اروڑ سمیت گردو نواح کے علاقوں میں شدید گرمی کا سلسلہ جاری ہے۔

تپتی دھوپ اور گرم ہوائیں چلنے سے شہری بالخصوص بچے گیسٹرو سمیت دیگر پیٹ کے امراض میں مبتلا ہورہے ہیں۔

گزشتہ 24گھنٹوں کے دوران سول اسپتال سکھر سمیت دیگر سرکاری و نجی اسپتالوں میں 30سے زائد گیسٹرو سے متاثرہ مریضوں کو لایا گیا، جس میں زیادہ تعداد بچوں اور خواتین کی ہے۔

 

روزہ کی حالت میں منہ سے آنے والی بو سے نجات کا آسان حل

کھانے میں احتیاط :

ماہرین کا کہنا ہے کہ منہ میں بدبو کی وجہ عارضی یا مستقل ہو سکتی ہے تاہم عارضی بو مخصوص کھانوں کی وجہ سے ہوتی ہے جیسے پیاز اور لہسن وغیرہ جنہیں کھانے سے منہ سے وقتی طور پر بدبو آتی ہے۔

جب یہ خوارک خون میں ملتی ہے تو پھیپھڑوں سے سانس خارج ہونے کے بعد منہ سے بو آتی ہے اور اس بدبو کو ان کھانوں سے بچ کر روکا جا سکتا ہے۔

زبان کی صفائی :

زبان کے اوپر بیکٹیریا اکٹھے ہونے کی وجہ سے منہ سے مستقل بو آتی ہے اور یہ بیکٹیریا اس وقت مزید پھلتے پھولتے ہیں جب ہمارا منہ خشک ہوتا ہے۔

روزے دار کو چاہیے کہ سحری اور افطار کے بعد برش یا مسواک ضرور کریں اور انہیں زبان کے اوپر بھی اچھی طرح رگڑیں تا کہ بیکٹیریاز سے نجات پائی جا سکے۔

زیادہ سے زیادہ پانی کا استعمال:

روزے دار کا منہ مسلسل 15 سے 16 گھنٹے خشک رہنے کی وجہ سے بھی منہ میں بدبو پیدا ہوجاتی ہے. آپ کو چاہیے کہ سحری اورافطاری میں پانی کا وافر استعمال کریں تا کہ منہ خشک نہ ہو اور منہ سے بو بھی نہ آئے۔
ماؤتھ واش کا استعمال:

منہ میں کھانے کے ذرات رہنا بھی بو کا باعث بنتا ہے اس لئے روزے دار کو چاہیے کہ رمضان المبارک کے علاوہ عام ایام میں بھی دانتوں کی صفائی کا خاص خیال رکھیں اور منہ سے آنے والی بو سے نجات کے لئے دانت صاف کرنے کے علاوہ ماؤتھ واش کا استعمال ضرور کریں۔

کافی اور چائے کا استعمال :

بہت سے لوگ چائے اور کافی کے شوقین ہوتے ہیں اور ان کے لئے رمضان المبارک کے دوران چائے اور کافی سے دور رہنا مشکل ہوتا ہے لیکن اس سے بھی منہ میں بدبو پیدا ہوتی ہے۔ ماہرین ایسے افراد کے لئے کہتے ہیں کہ رمضان المبارک کے دوران چائے اور کافی کے بجائے ٹھنڈے مشروبات اور پھلوں کا استعمال کریں تاکہ وہ منہ کی بو سے نجات حاصل کر سکیں۔

تمباکو نوشی سے پرہیز:

جو لوگ سگریٹ یا دیگر نشے کا استعمال کرتے ہیں انہیں منہ سے ناگوار بو کی شکایت رہتی ہے۔ اگر آپ تمباکو کسی بھی صورت میں استعمال کرتے ہیں تو فوراً اس سے نجات حاصل کرلیں۔

منہ میں انفیکشن :

اس بات کا خیال رکھیں کہ کہیں آپ کے منہ میں کوئی انفیکشن تو نہیں کیونکہ انفیکشن کی وجہ سے بھی منہ سے بو آتی ہے۔ اگر منہ میں انفیکشن کی شکایت ہو تو فوری طور پر معالج سے رابطہ کریں۔

دہی کا استعمال :

تحقیق کے بعد یہ بات سامنے آئی ہے کہ دہی کھانے سے منہ میں موجود بیکٹیریا ختم ہوجاتے ہیں اس لئے اگر روزے دار رمضان المبارک کے دوران دہی کو سحری میں کھانے کا حصہ بنالیں تو منہ کی بو اور دن بھر پیاس لگنے کی شکایت سے محفوظ رہا جاسکتا ہے۔

دوائیوں کا استعمال :

بلڈ پریشر، شوگر اور معدے کے مرض میں اکثر لوگ مبتلا رہتے ہیں جو رمضان المبارک کے دوران روزے کر ترک کرنا نہیں چاہتے اور ادویات کھانے کی صورت میں انہیں منہ سے بو کی شکایت بھی ہوتی ہے۔

اس حوالے سے ماہرین کا کہنا ہے کہ بعض ادویات ایسی ہوتی ہیں جن کے استعمال سے منہ سے بو آنا شروع ہوجاتی ہے، اگر آپ کو کبھی ادویات استعمال کرنے کی وجہ سے اس قسم کی پریشانی کا سامنا کرنا پڑے تو پریشان نہ ہوں اور کثرت سے دودھ اور دہی کا استعمال کریں۔

ایتھوپیا کےٹیڈروزعالمی ادارہ صحت کے نئے سربراہ منتخب

عالمی ادارہ صحت کے سربراہ کے دیگر دو امیدواروں میں برطانوی ڈاکٹر ڈیوڈ نابارو اور سابق پاکستانی وزیر صحت سنیعہ نشتر بھی شامل تھیں۔

ووٹنگ کے پہلے راؤنڈ میں سنیعہ نشتر سربراہی کی دوڑ سے باہر ہوگئی تھیں۔

دوسرے اور تیسرے راؤنڈ کے بعد ایتھوپیا کے سابق وزیر صحت ٹیڈروز ایڈہانوم نے برطانوی ڈاکٹر کو شکست دینے میں کامیاب ہوگئے۔

کامیاب امیدوار ڈی جی ڈبلیو ایچ او مارگریٹ چان کی جگہ لے گا۔

پنجاب فوڈ اتھارٹی نے بھوربن کے ہوٹل کا کچن سیل کر دیا

ٹیم کے مطابق ہوٹل کے کچن میں لال بیگوں کی بھرمارپائی گئی جبکہ کھانے پینے کی اشیاء کا معیار بھی ناقص تھا۔

پنجاب فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نےبھوربن میں کارروائی کرتےہوئےکاکروچوں کی بھرماراورناقص خوراک پرایک فائیو اسٹار ہوٹل کا کچن سیل کر دیا اورہوٹل کو ایک لاکھ روپےجرمانہ کر دیا۔

پنجاب فوڈ اتھارٹی نے لاہور میں بھی کارروائی کی اور ایک بڑے ہوٹل کے کچن میں ناقص صفائی کےانتظامات پر 10لاکھ روپے جرمانہ کیا گیا ۔

ترجمان پنجاب فوڈ اتھارٹی کےمطابق ڈائریکٹر آپریشنز نارتھ بلاول ابڑو کی قیادت میں ٹیم نے بھوربن میں کارروائی کی،فائیواسٹار معروف ہوٹل کے کچن میں کاکروچوں کی بھرمار پائی گئی۔

گٹر کی کھلی نالی کچن کے اندر سے گزر رہی تھی،آئس کریم کھلی اور انتہائی ناقص حالت میں اسٹورکی گئی تھی،جبکہ پانی کے فلٹر ایکسپائر اور انتہائی گندے ہوچکےتھے،ٹیم نے ناقص صفائی اور غیرمعیاری خوراک پرکچن سیل کرکےہوٹل انتظامیہ کو ایک لاکھ روپے جرمانہ کر دیا ۔

پنجاب فوڈ اتھارٹی حکام کےمطابق اسی فائیو اسٹار ہوٹل کا کچن 6 ماہ پہلے بھی سیل کیا گیا تھا۔

Google Analytics Alternative