صحت

بادام کھانے سے جسم میں مفید کولیسٹرول کی مقدار بڑھ سکتی ہے

پنسلوانیا: ایک مطالعے سے معلوم ہوا ہے کہ باقاعدگی سے بادام کھانا جسم میں مفید کولیسٹرول بڑھا سکتا ہے۔

ایک مختصر مطالعے سے انکشاف ہوا ہے کہ بادام ایچ ڈی ایل کولیسٹرول کو بڑھاتا ہے جسے ’’اچھا کولیسٹرول‘‘ کہا جاتا ہے جبکہ دوسری جانب یہ جسم سے برے کولیسٹرول کو بھی نکال باہر کرتا ہے۔

اس مطالعے میں لوگوں کو دو گروہوں میں تقسیم کیا گیا اور ان میں سے ایک کو روزانہ بادام کھلائے گئے جبکہ دوسرے گروپ کو چھوٹے کیک دیئے گئے۔ اس دوران دونوں گروپس میں ہائی ڈینسٹی لائپوپروٹین (ایچ ڈی ایل) کی مقدار کو نوٹ کیا جاتا رہا۔ اس مطالعے سے واضح ہوا کہ بادام کھانے والے افراد میں جسم کے لیے موزوں ایچ ڈی ایل کی مقدار بڑھی اور اس کی کارکردگی بھی بہتر ہوئی۔

کولیسٹرول کو قابو میں رکھنے والی تدابیر

کولیسٹرول کا بڑھنا انسانی صحت کے لیے نہایت خطر ناک ہے جس سے امراض قلب سمیت کئی امراض لاحق ہوسکتے ہیں۔

ہائی کولیسٹرول کو اب بنا کسی دوا کے متوازن رکھا جا سکتا ہے جس کے لیے آپ آسان طریقوں سے اسے قابو کرسکتے ہیں۔

ماہرین کے مطابق کھانے میں ان تمام چیزوں سے احتیاط کیا جائے جن سے چکنائی کا حصول زیادہ ہو کیونکہ چکنائی کولیسٹرول کو بڑھاتی ہے اس کی وجہ سے جسم میں گرمائش بھی بڑھ جاتی ہے جو کہ انسانی صحت کے لئے نقصان دہ ثابت ہوتی ہے۔

جب کہ اومیگا 3 فیٹی ایسڈ دل کے لیے مفید ہے۔

ماہرین کا کہنا ہےکہ صحت کے لیے ورزش ہر لحاظ سے فائدہ مند ہے اور یہی وجہ ہے کہ یہ جسم میں کولیسٹرول کو کنٹرول رکھنے میں بہت موثر ہے۔

ایروبک ورزش جو کہ آپ کا وزن گھٹانے کے لیے خصوصی طور پر کی جاتی ہے اس کے اثر سے کولیسڑول بھی متوازن رہتا ہے۔

ماہرین کے مطابق کوشش کریں کہ تیراکی، دوڑ اور چہل قدمی یا ایسی ورزش جو وزن کو متوازن رکھنے کے لیے ہوتی ہے اسے روزانہ کی بنیاد پر کیا جائے تاکہ جسم میں چربی نہ بڑھ پائے اور کولیسٹرول بھی اس کی مدد سے قابو میں رہے۔

ماہرین کا کہنا ہےکہ ایسے پھلوں اور چیزوں کا استعمال کیا جائے جن میں فائبر کی مقدار زیادہ ہو  کیونکہ فائبر جسم میں کولیسٹرول لیول کو انتہائی درست طور پر برقرار رکھتا ہے۔

فائبر حاصل کرنے کے لیے آڑو، سیب، جو ، نارنجی، دلیا اور مٹر جیسی غذاوں کا استعمال کیا جائے تاکہ یہ جسم میں فائبر کی مقدار بڑھائیں۔

سگریٹ اور الکوہل سے پرہیز کرنا کولیسٹرول لیول کم کرنے میں ایک جادوئی کردار ادا کرتا ہے۔

تحقیق کے مطابق صرف 20 منٹ تک سگریٹ سے بچاو دل کے دباو اور خون کا پریشر فی الفور کم کردیتا ہے اور دل کے امراض میں مبتلا ہونے سے بچاتا ہے ۔

فائبر کی طرح پروٹین کا استعمال صحت کے لیے بہت موثر ہے ۔پروٹین کا استعمال کولیسٹرول اور شوگر کو کم کرتا ہے۔

ماہرین کا کہنا ہےکہ غذا میں مٹر ، انڈے، پھلیاں اور دالوں کا استعمال کولیسٹرول کو بڑھنے سے روکتے ہیں اس لیے انہیں اپنی غذا میں شامل رکھیں اور صحت کو بہتر بنائیں

بالوں کو مضبوط اور خوبصورت بنانے والی غذائیں

بالوں کی خوبصورتی کا خیال ہر ایک کو ہوتا ہے اور مرد و خواتین دونوں ہی اپنے بال خوبصورت دیکھنا چاہتے ہیں اس لیے ہم آپ کو کچھ ایسے گھریلو طریقے بتارہے ہیں جس سے آپ اپنے بالوں کو مزید خوبصورت بناسکتے ہیں۔

بالوں کی ہر لڑی سیلز پر مبنی ہوتی ہے جو کہ پروٹین جسے کیراٹین کہا جاتا ہے اسے فراہم کرتی ہے۔ بالوں کو مسلسل وٹامن اور معدنیات سے نشوونما کی ضرورت ہوتی ہے جس کی مدد سے بال لمبے گھنے اور مضبوط بنتے ہیں۔

بالوں کو حسین بنانے کے لیے ماہرین نے کچھ ایسی غذاؤں کا انکشاف کیا ہے جو آپ کے بالوں کو مکمل طور پر صحت مند اور مزید دلکش بناتی ہیں۔

انڈہ:

بالوں کی بنیادی ضرورت پروٹین ہے جس پر ان کی خوبصورتی کا انحصار ہوتا ہے۔ پروٹین کے لیے ضروری ہے کہ انڈہ اپنی غذا میں شامل کریں کیونکہ انڈہ کھانے سے جسم میں پروٹین کی مقدار بڑھتی ہے جو کے خالص اور قدرتی طور پر پروٹین سے بھر پور ہے۔ اس سے بال لمبے اور گھنے ہوتے ہیں۔

پالک:

پالک آئرن کی فراہمی میں مددگار ہے یہاں یہاں تک کے جسم میں اگر معدنی قوت اور آئرن کی مقدار کم پائی جائے تو اس کو بڑھانے میں مدد فراہم کرتی ہے۔

آئرن کی کمی بالوں کی نشوونما کو روکتی ہے اور ساتھ ہی بال کمزور ہوکر گرنے لگتے ہیں۔ آئرن کی کمی کے باعث بالوں کی جڑوں میں آکسیجن اور نیوٹریشن کی فراہمی نہیں پہنچ پاتی جس سے فولیسلز بالوں کی لٹوں کو کمزور کردیتے ہیں۔

لیموں کا رس:

غذائی ماہرین کے مطابق روزانہ ایک لیمو وٹامن سی حاصل کرنے کے لیے مفید ہے۔ ایک گلاس لیمو پانی پینے سے وٹامن سی کی فراہمی وافر مقدار میں حاصل ہوتی ہے جو دماغ کی باریک شریانوں کو بالوں سے جوڑتی ہیں جو کہ بالوں کو تیزی سے بڑھنے میں مدد فراہم کرتی ہیں۔

اس کے علاوہ نارنجی میں بھی وٹامن سی کی بھرپور مقدار ہوتی ہے۔

بادام اخروٹ اور السی کا بیج:

ماہرین کے مطابق بادام اور اخروٹ میں اومیگا 3 فیٹی ایسڈ پائے جاتے ہیں جو بالوں کی نشوونما کے لیے انتہائی مفید ہے۔ یہ کمزور اور پتلے بالوں کو مضبوط اور گھنا کرنے میں آسانی پیدا کرتا ہے۔

اس کے علاوہ السی کے بیج میں بھی اومیگا 3 فیٹی ایسڈ پائے جاتے ہیں۔

گندم:

گندم میں وافر مقدار میں بائیوٹن پایا جاتا ہے۔ اس سے آئرن اور زنک اور وٹامن بی بھی حاصل ہوتا ہے۔ بائیوٹن کی ضرورت سیلز کو پھیلانے کے لیے درکار ہوتی ہے جو کہ اماینو ایسڈ کی فراہمی میں اہم کردار ادا کرتا ہے جس کے تحت بالوں کی نشوونما حاصل ہوتی ہے۔

گاجر کا جوس:

گاجر کا جوس تیزی سے بالوں کی قوت مدافعت کو بڑھا کر انہیں لمبا ہونے میں مدد دیتا ہے ۔ اس کی وجہ سے جسم میں ٹشوز تیزی سے بڑھتے ہیں۔ جسم میں وٹامن اے کی مقدار سیلز کو بڑھنے میں مدد فراہم کرتی ہے۔

ناشپاتی:

وٹامن ای خون کی گردش کو بڑھاتا ہے اس میں موجود فولیسلز کو بالوں کو لمبا کرنے کے لیے مدد کرتے ہیں۔ یہ تیل اور پی ایچ لیول کو متوازن کرتا ہے تاکہ اگر اس میں زیادتی ہوجائے تو یہ بالوں کی نشوونما کو نہ روک سکے

جلد کو دانوں اور کیل مہاسوں سے بچانے کے نسخے

چہرہ انسان کی خوبصورتی کو بیان کرتا ہے لیکن کبھی موسم کا اتار چڑھاؤ اور کبھی ماحولیاتی آلودگی سے جلد پر دانے اور دھبے نمودار کردیتی ہے جس کے نتیجے میں جلد کی خوبصورتی اثر انداز کرتی ہے اسی لیے ہم آپ کو جلد کے داغ دھبوں سے چھٹکارے کے آسان حل بتارہے ہیں۔

ماہرین کے مطابق گھریلو نسخوں سے جلد کی حفاظت کی جاسکتی ہے جو کہ انتہائی آسان اور مفید ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ جب بھی چہرے پر دانے اور کیل مہاسے ابھر آئیں تو ان پر ہاتھ نہ لگائیں اور نہ ہی انہیں نوچیں کیونکہ اس سے ہاتھوں کے جراثیم ان پر لگتے ہیں جس سے یہ مزید پھیلتے ہیں۔

کھیرا:

جلد کے لیے کھیرا انتہائی مفید اور مؤثر ہے۔ یہ جلد کو نم  رکھنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

لیموں کا رس:

چہرے پر لیموں کا استعمال بھی کیل مہاسوں کے داغ دھبوں کو دور کرتا ہے۔

جلدی ماہرین کا کہنا ہے کہ ایسے صابن، فیس واش اور دیگر چیزوں کو استعمال کرنے سے اجتناب کیا جائے جن میں کیمیکل بھاری مقدار میں پایا جاتا ہے۔

جب کہ جلد کے لیے سافٹ کلینزرز، نرم ملائم ٹاول یا روئی  کا استعمال کرنا چاہیے۔

کھوپرے کا تیل:

ماہرین کے مطابق جلد پرکھوپرے کے تیل کا مساج چہرے کی رونق اور کشش کو بڑھاتا ہے جب کہ اس سے داغ اور دھبے کافی ہد تک ہلکے پڑ جاتے ہیں۔

زیتون کا تیل:

جلد کے لیے زیتون کا تیل بھی افادیت کا حامل ہے اس سے وٹامن ڈی اور اے حاصل ہوتا ہے جو جلد کے مسام کو صاف رکھنے میں مدد دیتا ہے۔

ماہرین کے مطابق یہ کہنے کی باتیں ہیں کہ کیل مہاسے تیل والی چیزیں کھانے سے ہوتے ہیں جب کہ اس کا تعلق جلد کے مسام بند ہوجانے اور ان میں ایسے جراثیم سے ہے جو جلد کے لیے انتہائی خطرناک ہیں۔

دھوپ میں نکلنے سے گریز کریں:

ماہرین کا کہنا ہے کہ دانے اور کیل مہاسوں سے بچنے کے لیے ضروری ہے کہ آپ تیز دھوپ میں نکلنے سے گریز کریں کیونکہ سورج کی شعاعیں جلد میں بے جان سیلز کو بڑھاوا دیتی ہیں جو کہ جلد کی رنگت کو بھی متاثر کرتی ہیں۔

اس کے بچاؤ اور جلد کی حفاظت کے لیے بینزوفینونز، سینامیٹش اور سیلیسیلٹزکا استعمال ضروری ہے جو پانی والے پھل اور سبزیوں سے حاصل ہوتے ہیں

شہد کے 6 مفید اور حیران کن فوائد

قدرت کی بے تحاشہ خوبیوں سے مالا مال شہد انسان کو غذائیت فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ بیماریوں سے بچانے اور صحت مند رکھنے کے لئے انتہائی مفید ہے۔ 

شہد ایسی غذا ہے جو دنیا کے ہر کونے میں باآسانی دستیاب ہوتی ہے، قدرتی طور پر میٹھا ہونے کے ساتھ شہد میں کئی بیماریوں کا علاج بھی چھپا ہے۔

شہد کے چند زبردست فوائد ایسے ہیں جنہیں آپ نظر انداز نہیں کر سکیں گے۔

قوتِ مدافعت کے لئے مفید:

شہد میں پروبائیوٹک بیکٹیریا موجود ہوتا ہے جو قوتِ مدافعت کو بڑھانے کا کام انجام دیتا ہے جسے لیکٹو بیسیلس کُن کائی بھی کہا جاتا ہے، یہ بیکٹیریا قوتِ مدافعت کو بڑھانے کے علاوہ جراثیم سے لڑنے میں مدد بھی کرتا ہے۔

ننید کوبہتر کرتا ہے :

شہد کے استعمال سے جگر میں گلائیکوجن پیدا ہوتا ہے جو یادداشت کے ہارمون میلانن پر اثر انداز ہوتا ہے جس سے پرسکون نیند آتی ہے جو انسانی صحت کے لئے انتہائی مفید ہے۔

وزن کم کرنے میں مددگار :

شہد میں وٹامن بی6 اور وٹامن سی موجود ہوتا ہے جو کولیسٹرول کی تعداد کو کم کرکے وزن کم کرنے میں کافی مدد گار ثابت ہوتا ہے۔

زخموں پر اثر انداز : 
شہد کو جب زخم پر لگایا جاتا ہے تو اس میں موجود گلوکوز اور فرکٹوز پانی کو جذب کر لیتے ہیں۔ شہد میں موجود بیکٹیریا ایک قدرتی دوائی کی طرح کام کرتا ہے۔ اس کے علاوہ شہد میں پائی جانے والی غذائی مواد سے سوجن بھی نہیں ہو تی۔

دل کے امراض سے بچاؤ :

شہد کے استعمال سے پولی فونک اینٹی آکسیڈنٹ کی مقدار جسم میں بڑھ جاتی ہے جو دل کے امراض سے بچانے میں مددگات ثابت ہوتی ہے۔

شہد بالوں کو نرم و ملائم بناتا ہے :

شہد قدرتی کنڈیشنر بھی ہے جو بالوں کی نمی کو برقرار رکھتا ہے جس سے بال نرم و ملائم اور چمکدار ہو جاتے ہیں

فلپائن: برڈ فلو، 4 لاکھ پرندے تلف کرنے کا اعلان

فلپائن میں برڈ فلو کی وبا کے نتیجے میں 4 لاکھ پرندوں کو تلف کیا جائے گا۔

حکام نے گزشتہ روز بتایا کہ اس وبا کی موجودگی کے بعد یہ فیصلہ کیا گیا ہے تاہم ابھی تک کسی فرد کے اس بیماری میں مبتلا ہونے کی کوئی رپورٹ درج نہیں ہوئی ہے۔

بتایا گیا ہے کہ اس حالیہ وبا کی وجہ سے ملک کے چھ پولٹری فارمز میں تقریبا 40 ہزار مرغیاں، بطخیں اور دیگر اقسام کے پرندے ہلاک ہو چکے ہیں۔

حکام کے مطابق جہاں یہ ہلاکتیں ہوئیں ہیں، وہاں ارد گرد کے ایک کلو میٹر علاقے میں نصف ملین کے قریب پرندوں کو ہلاک کر دیا جائے گا تاکہ یہ وبا دیگر علاقوں میں نہ پھیلے

جسمانی وزن میں کمی لانے والی فائدہ مند غذا

کیا ورزش کے بغیر جسمانی وزن میں کمی لانا چاہتے ہیں ؟ تو کچھ کرنے کی بجائے اپنے کھانے کی پلیٹ پر دھیان دیں اور اس میں مرچ مصالحہ بڑھا دیں۔

یہ دعویٰ ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا۔

تحقیق میں بتایا گیا کہ مصالحے دار غذائیں زیادہ کیلوریز جلا کر چربی کو تیزی سے گھلاتی ہیں۔

خراٹوں سے نجات پانا بہت آسان

کیا آپ نیند کے دوران خراٹے لیتے ہیں؟ ویسے تو یہ اتنے نقصان دہ نہیں ہوتے تاہم ان کی شدت بڑھنے سے دماغی افعال پر اثرات مرتب ہوتے ہیں جن سے فالج، دل کے دورے اور ڈپریشن سمیت مختلف امراض کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔

مگر یہ عادت گھر والوں کی نیند بھی متاثر کرتی ہے جن کے لیے کسی خراٹے لینے والے شخص کے قریب سونا آسان نہیں ہوتا۔

اگر آپ یا کوئی پیارا اس عادت کا شکار ہے تو ان آسان گھریلو ٹوٹکوں کو آزما کر دیکھیں، ہوسکتا ہے یہ کارآمد ثابت ہوں۔

Google Analytics Alternative