صحت

2 آسان طریقے جو 7 سال زندگی بڑھائیں

ہر انسان کی خواہش ہوتی ہے کہ وہ بہتر اور صحت مند زندگی گزارے، اس لیے وہ صحت پانے کے لیے تمام تر اقدامات کرتا ہے۔

تاہم دنیا میں کروڑوں لوگ ایسے ہیں جو اپنی صحت سے متعلق کئی اقدامات کرنے کے باوجود نہایت ہی چھوٹی چھوٹی ایسی غلطیاں کرتے ہیں، جن کہ وجہ سے وہ بیمار پڑ جاتے ہیں۔

ماہرین اور صحت سے متعلق کام کرنے والے کئی عالمی ادارے متعدد بار یہ کہ چکے ہیں کہ تمباکو نوشی و شراب نوشی نہ صرف صحت مند زندگی کے لیے خطرہ ہیں، بلکہ یہ جلد موت کا سبب بھی بنتے ہیں۔

لیکن اب ایک حالیہ تحقیق میں بھی اس بات کی تصدیق ہوگئی کہ سگریٹ اور شراب نوشی صحت کے لیے مفید نہیں ہیں۔

امریکا کی مشی گن یونیورسٹی کی جانب سے کی جانے والی ایک حالیہ تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ 2 سادہ اور عام اصولوں پر عمل کرکے لوگ نہ صرف صحت مند بلکہ عام انسانوں سے کم سے کم 7 سال طویل زندگی بھی گزار سکتے ہیں۔

ائنس جرنل ’ہیلتھ افیئرز‘ میں شائع تحقیقاتی رپورٹ کے مطابق زندگی بھر ’شراب نوشی‘ اور ’سگریٹ نوشی‘ نہ کرنے والے افراد عام انسانوں کے مقابلے 7 سال زیادہ زندگی جیتے ہیں، جب کہ انہیں کوئی بیماری بھی نہیں ہوتی۔

رپورٹ کے مطابق مشی گن یونیورسٹی کے ماہرین نے 50 سے 80 سال عمر کے 14 ہزار امریکی افراد کے صحت سے متعلق ڈیٹا کا جائزہ لیا۔

ان افراد میں خواتین بھی شامل تھیں، جب کہ ڈیٹا میں سگریٹ و شراب نوشی کرنے والے افراد سمیت دیگر افراد کا ڈیٹا بھی شامل تھا۔

منہ زیادہ میٹھا کرنے کا یہ نقصان جانتے ہیں؟

اگر تو آپ زیادہ میٹھا کھانے کے شوقین ہیں تو شوگر یا ذیابیطس سے قطع نظر ڈپریشن اور ذہنی بے چینی جیسے امراض بھی آپ کو زیادہ آسانی سے دبوچ سکتے ہیں۔

یہ بات برطانیہ میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آئی۔

لندن کالج یونیورسٹی کی تحقیق میں بتایا گیا کہ جو مرد زیادہ چینی کھانے کے عادی ہوتے ہیں ان میں ذہنی امراض کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔

کینسر کو دور رکھنے والی مزیدار غذا

کیا آپ زندگی میں کینسر جیسے جان لیوا مرض سے بچنا چاہتے ہیں جبکہ اپنے پیٹ کو بھی مختلف مسائل سے بچانا چاہتے ہیں؟

اگر ہاں تو روزانہ کچھ مقدار میں اخروٹ کھانا عادت بنالیں۔

یہ بات امریکا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آئی۔

ہائی بلڈ پریشر میں مفید غذائیں

اگر انسان کو ہائی بلڈ پریشر سے نجات حاصل کرنی ہے تو اسے فوری طور پر نمک والی خوراک متروک کرنا ہوگا

لاہور جب ہم بے احتیاطی کرتے ہیں تو خوراک ہماری دشمن بن جاتی ہے ۔ ہم بے احتیاطی میں وہ سب غذائیں لیتے ہیں جو مضر صحت ہوتی ہیں مثلاً ہمیں سب سے پہلے نمک کی مقدار کم سے کم کرنے کا مشورہ دیا جاتا ہے لیکن عموماً ہائی بلڈ پریشر کے مریضوں کو نمکین غذاؤں اور کچا نمک کھانے سے رغبت ہوا کرتی ہے ۔ اگر ہائی بلڈ پریشر روکنا ہے تو نمک کو تقریباً خوراک سے نکالنا ہوگا یا اثر زائل کرنا ہوگا ۔ ذیل میں نمک کا توڑ کرنے والی غذاؤں کے بارے بتایا گیا ہے ۔
کیلا

سوڈیم یا نمک کی زیادتی بلڈ پریشر بڑھادیتی ہے تو اس کا اولین توڑ پوٹاشیم سے کیجیے جو کیلے میں وافر مقدار میں موجود ہوتا ہے ۔ ایک تحقیق کے مطابق دن بھر میں صرف دو کیلوں کا استعمال دس فیصد تک بلڈ پریشر کنٹرول کردیتا ہے ۔
ٹماٹر:ٹماٹر میں Lycopeneموجود ہے اور یہ جزو بلڈ پریشر کی شرح کم کرنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے ۔ روزانہ کی خوراک میں کچی سلاد شامل کرکے خراب کولیسٹرول کی شرح بہت حد تک کم کی جاسکتی ہے ۔ بھاپ میں ٹماٹر گلا لیجیے ۔ گردوں کے مسائل نہ ہوں تو بیجوں سمیت ورنہ بیج کے بغیر کھائیں ، آرام محسوس کریں گے۔

انڈے کی سفیدی

اپنے دن کا آغاز اچھے ناشتے سے کرنا ضروری ہے اور اسے طرز زندگی میں شامل کرنا اور بھی اہمیت رکھتا ہے ۔ دن کے آغاز میں ہمارے جسم کو پروٹین کی ضرورت ہوتی ہے ۔ کم از کم ایک انڈے کی سفیدی تو کھائی جاسکتی ہے ۔
تربوز:موسم گرما میں بلاناغہ ہرروز تھوڑا سا تربوز خالی پیٹ کھانا مفید ہے ۔ یہ دوران خون کو کنٹرول رکھتا ہے ۔
کشمش:کشمش کی تھوڑی مقدار ہائی بلڈ پریشر کو کنٹرول کرنے میں مفید ہے ۔
سبز چائے

سیاہ چائے اور کافی کی مقدار کو کم سے کم کرکے سبز چائے کو معمول بنانا چاہیے۔ چھ ہفتوں تک تین کپ سبزچائے کا روزانہ استعمال سات پوائنٹس تک کمی لاسکتا ہے۔
سمندری یا ہمالیائی نمک

عام نمک میں وہ معدنیات سوڈیم اور کلورائیڈ موجود ہیں جبکہ دوسرے(سمندری یا ہمالیائی) میں ستر سے زائد معدنیات موجود ہیں جو ہمارے اعصابی نظام اور دل کی کارکردگی کے لیے ضروری ہیں ۔ آخر الذکر میں سوڈیم کی مقدار بے حد معمولی ہوتی ہے ۔ زیادہ سوڈیم سے ہمارے جسم میں پانی جمع رہتا ہے جس کے نتیجے میں خون کی مقدار بڑھ جاتی ہے ۔
مچھلی اور اس کاتیل

مچھلی اور اس کے تیل کے سپلی منٹ دونوں دل کی بیماریوں اور ہائی بلڈ پریشر کے لیے مفید ہیں۔
اخروٹ، بادام ، تخم بالنگا اور دلیہ:صنوبری بادام، اخروٹ، دلیے میں ملا کر کھانے سے ہائی بلڈ پریشر کنٹرول ہوتا ہے ۔ تخم بالنگا کو شربت می استعمال کیا جاتا ہے ۔ یہ پیٹ کی گرمی دور کرنے کے علاوہ دوران خون کو بھی اعتدال میں لاتا ہے ۔ چند دانے صاف پانی میں بھگو کررکھ دیں یہ پھول جائیں گے تو لال شربت ملا کر پی لیں ۔ روزانہ کھلی فضا میں گہری سانسیں لینے سے بلڈ پریشر نارمل ہونے کی جانب مائل ہوتا ہے ۔ اس کے ساتھ بلڈ پریشر کی مانیٹرنگ اور باقاعدہ ورزش ضروری ہے ۔

دنیا کا ہر پانچواں شخص تمباکو کا عادی

دنیا بھر میں تمباکو کے استعمال کی حوصلہ شکنی کی کوششوں کے باوجود تاحال ہر پانچواں شخص اس کا عادی ہے۔

اس وقت عالمی سطح پر 4 ارب 70 کروڑ افراد تک تمباکو سے دور رہیں یا ’نو سموکنگ‘ کا پیغام پہنچایا جا رہا ہے، لیکن اس کے باوجود بھی اس کے استعمال میں کمی واقع نہیں ہو رہی۔

   عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کے مطابق 2007 تک نو سموکنگ اور تمباکو سے پرہیز جیسے پیغامات صرف ایک ارب افراد تک پہنچائے جاتے تھے، لیکن اب اس کی تعداد تین گنا بڑھ چکی ہے۔

لیکن اس کے باوجود اس وقت بھی ہر دس اموات میں سے ایک موت تمباکو کے استعمال کی وجہ سے ہو رہی ہے، جو سالانہ 70 لاکھ اموات بنتی ہیں۔

مصنوعی مٹھاس سے جان لیوا امراض کا خطرہ، تحقیق

ماہرین کے مطابق مصنوعی مٹھاس سے موٹاپا، کولیسٹرول کا بڑھنا، بلڈ پریشر اور دیگر امراض جیسے شکایات کا سامنا ہوسکتا ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ مصنوعی مٹھاس کا استعمال انتہائی مضر صحت ہے اس سے اکثر وزن میں تیزی سے اضافہ ہوتاہے اور موٹاپا تیزی سے بڑھتا ہے۔

جب کہ مصنوعی مٹھا س سے میٹابولزم، گٹ بیکٹیریا اور بھوک پر بھی منفی اثرات پڑتے ہیں۔

کینیڈا کی مینی ٹوبا یونیورسٹی میں کی جانے والی تحقیق کے مطابق چینی کے متبادل کوئی مصنوعی مٹھاس استعمال کرنا یا سکرولوس اور سٹیویا کا استعمال ہائی بلڈ پریشر اور دل کے امراض کا خدشہ زیادہ بڑھا دیتا ہے۔

کینیڈین میڈیکل ایسوسی ایشن جرنل میں شائع ہونے والی تحقیق کے مطابق ایک ہزار سے زائد لوگوں کو 6 ماہ تک مصنوعی مٹھاس دی گئی اور ان کی صحت کا جائزہ لیا گیا جس سے پتا چلا کہ مصنوعی مٹھاس سے وزن کا متوازن رہنا یا کم ہونے کے اثرات سامنے نہیں آئے بلکہ یہ شوگر، موٹاپے، بلڈ پریشر، دل کے امراض اور دیگر بیماریوں کا سبب بنتی ہے۔

ماہرین کے مطابق مصنوعی مٹھاس صحت کا وزن متوازن اور برقرار رکھنے میں مثبت کردار ادا نہیں کرتی۔ اس لیے اپنی غذا میں خالص مٹھاس شامل رکھیں اور چینی کا استعمال بھی کم سے کم رکھیں۔

پیرس: میلانیا ٹرمپ کا سرپرائز، چلڈرن اسپتال پہنچ گئیں

امریکی خاتون اوّل میلانیا ٹرمپ مریض بچوں کو سرپرائز دینے فرانس کے چلڈرن اسپتال پہنچ گئیں۔ میلانیا ٹرمپ نے فرانس کے دارالحکومت پیرس کے ’نیکر‘اسپتال کا دورہ کیا۔

انہوں نے بیمار بچوں کے ساتھ نہ صرف فرانسیسی زبان میں گپ شپ کی بلکہ خواشگوار موڈ میں وقت بھی گزارا۔ امریکی خاتون اوّل کو اپنے سامنے دیکھ کر بچے بیحد خوش ہوئے۔

واضح رہےامریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور اُنکی اہلیہ میلانیا ٹرمپ اِن دنوں فرانس کے دورے پر ہیں۔

لاہور:جانور کی ہڈی سے جیلی پاؤڈر بنانے والی فیکٹری سیل

پنجاب فوڈ اتھارٹی کےمطابق مریدکے کے ویران علاقے میں قائم فیکٹری میں جانوروں کی ہڈیوں سے پاوڈرتیارکیا جاتا تھا جو بعد میں جیلی بنانے میں استعمال ہوتا تھا۔

پی ایف اے حکام کے مطابق فیکٹری بغیر لائسنس غیر قانونی طریقے سے کام کررہی تھی۔

حکاما کے مطابق چھاپے کے دوران فیکٹری مالکان حلال جانوروں کی ہڈیوں کے حصول کا ثبوت پیش نہ کرسکے اور یہ بھی نہ بتاسکے کہ ہڈیاں کہاں سے آتی ہیں۔

فوڈ اتھارٹی حکام نےیونٹ سیل کرکے مقدمہ درج کرادیا ،اورایک شخص کوگرفتارکرلیا۔

Google Analytics Alternative