قومی

رینجرز اختیارات میں توسیع کا معاملہ ایک دو دن میں حل ہوجائے گا ،نثارکھوڑو

پیپلزپارٹی کے سینئر رہنما نثارکھوڑو کا کہنا ہے کہ رینجرز اختیارات میں توسیع کا معاملہ ایک دو دن میں حل ہوجائے گا تاہم قانون کے تحت رینجرز اختیارات کی اسمبلی سے منظوری لازم ہے۔کراچی میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے نثار کھوڑو کا کہنا تھا کہ سندھ اسمبلی کا اجلاس 10 دسمبر کو طلب کیا جارہا ہے جس میں رینجرز اختیارات پر بات ہوگی اور اختیارات میں توسیع اسمبلی کی منظوری سے ہوجائے گی۔ ان کا کہنا تھا کہ کراچی میں پولیس کی کارکردگی بہتر بنانے کے لیے رینجرز کواستعمال کیا گیا جب کہ حکومت کی کوشش تھی کے شہر میں امن و امان قائم کیا جائے اور اب شہریوں نے دیکھ لیا کہ صورتحال بہتر ہوگئی ہے۔نثار کھوڑو نے واضح کیا کہ صوبائی حکومت رینجرز کے اختیارات میں توسیع کے خلاف نہیں بلکہ شہرقائد میں امن کے لئے رینجرز کے کردار کو سراہتے ہیں تاہم رینجرز کو ایک سال کے لیے بلایا گیاتھا جس کی مدت مکمل ہونے کے بعد اسمبلی سے منظوری لینا ضروری ہے اور اس حوالے سے رینجرز کی سمری پر تاحال دستخط نہیں کئے گئے۔ ان کا کہنا تھا کہ سندھ کابینہ میں تبدیلی ہوتی رہتی ہے اور کابینہ میں تبدیلی کا اختیار سندھ حکومت کے پاس ہی ہے جب کہ بلدیاتی انتخابات میں کراچی کا میئر اکثریت سے منتخب ہونے والی جماعت سے ہی ہوگا۔

پاکستان اور چین کی خصوصی فورسز کی مشترکہ تربیتی مشقوں کا آغاز ہو گیا

پاکستان اور چین کی خصوصی فورسز کی مشترکہ تربیتی مشقوں کا آغاز ہو گیا ہے جو آئندہ 2 ہفتوں تک جاری رہیں گی۔ پاک فوج کے تعلقات عامہ کے ادارے (آئی ایس پی آر) کے مطابق پاکستان اور چین کے درمیان مشترکہ مشقیں چین کے خودمختار علاقے چنگ ٹان جیا میں ہو رہی ہیں۔ آئی ایس پی آر کے مطابق مشترکہ مشقوں کی افتتاحی تقریب میں دونوں طرف کے سینئر فوجی افسران نے شرکت کی اور تقریب کے آغاز پر دونوں ممالک کے ترانے بجائے گئے۔ آئی ایس پی آر نے مزید کہا ہے کہ مشترکہ مشقیں دونوں ممالک کے درمیان عسکری تعلقات کو مزید مضبوط کریں گی۔

کسٹم نےتاریخ کی سب سے بڑی اسمگلنگ ناکام بنا دی

کراچی کے ائیر پورٹ پر کسٹم تاریخ کی سب سے بڑی اسمگلنگ ناکام بنا دی گئی ہے۔ذرائع کے مطابق کسٹم حکام نے معمول کی چیکنگ کے دوران 27 کروڑ مالیت کا الیکٹر انک سامان قبضے میں لے لیا ہے۔ اسمگلنگ کیے جانیوالے سامان میں گیارہ ہزار موبائل چار جر 2 ہزار ، بیٹریز اور دیگرسامان شامل ہے۔ حکام کے مطابق معمول کی چیکنگ کے دوران قبضے میں لے گئے سامان کی مالیت پاکستانی کرنسی میں کروڑ روپے بنتی ہے۔ سامان کو قبضے میں لے کر تفتیش شروع کردی گئی ہے۔ یا د رہے اس سے قابل پاکستان کے چھوٹے ائیر پورٹس سے سامان اسمگل کرنے کی کوششیں ناکام بنائی جارہی ہیں تاہم مصروف ترین ائیر پورٹ پر کی جانیوالی سب سے بڑی کارروائی ہے۔

پی آئی اے کاملک بھر میں فضائی آپریشن بند کرنے کا فیصلہ

پاکستان کی سرکاری ائیر لائن کی جوائنٹ ایکشن کمیشن کمیٹی نے ادارے کی مجوزہ نجکاری پر ملک بھر میں فضائی آپریشن بند کرنے کا فیصلہ کردیا نجی ٹی وی کے مطابق وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں پی آئی اے کی جوائنٹ ایکشن کمیٹی کا ہنگامی اجلاس ہوا اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ پی آئی اے کو اعتماد میں لئے بغیر سرکاری ائیر لائن کی نجکاری کا صدارتی آرڈیننس جاری کیا گیا جوائنٹ ایکشن کمیٹی نے اپنے ہنگامی اجلاس میں صدارتی آرڈیننس واپس نہ لئے جانے تک ملک گیر احتجاج کا فیصلہ بھی کیا ہے واضح رہے کہ پی آئی اے کی نجکاری کا آرڈیننس گذشتہ روز صدر مملکگ ممنو ن حسین نے جاری کیا تھا جس کے ذریعے قومی ادارے کو کمپنی ایکٹ کے تحت رجسٹرڈ کردیا گیا ہے۔

تاپی گیس منصو بے کی تعیمر 25 سال بعد شروع کرنے کا فیصلہ

گیس منصوبے کی تعیمر 25 سال بعد بالاخر شروع کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا۔ 10 ارب ڈالر مالیت کے اس منصوبے کی گراونڈ بریکنگ کی تقریب 13 دسمبر کو ترکمانستان کے دارالحکومت اشک آبادمیں ہوگی، اس تقریب میں وزیر اعظم نواز شریف بھی شرکت کریں گے. ڈان نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے ایم ڈی انٹرسٹیٹ گیس سسٹم مبین صولت نے بتایا کہ ملکی گیس کی طلب کے پیش نظر ترکمانستان سے گیس درآمد کرنے کے منصوبے پر 1990 میں مذاکرات شروع ہوئے، افغانستان میں خانہ جنگی اور دیگر مسائل کے باعث یہ منصوبہ تعطل کا شکار رہا، 25سال کی کاوشوں کے بعد بالاخر گیس پائپ لائن کی تعمیر پر 13دسمبر کو کام شروع ہو جائے گا، اس منصوبے کی گراو¿نڈ بریکنگ کی تقریب میں وزیراعظم نواز شریف کے علاوہ، ہندوستان اور افغانستان کے سربراہان بھی شرکت کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ انٹرسٹیٹ گیس سسٹم کے لیے تاپی گیس منصوبہ بہت بڑا چیلنج تھا، کئی سالوں کی کاوش کے بعد 2012 میں تاپی گیس منصوبے کے گیس سیل پرچیز معاہدے پر دستخط ہوئے، یہ منصوبہ پاکستان کے لیے اسٹریٹجک اہمیت کا حامل ہے، 2019 میں ٹاپی گیس منصوبے سے پاکستان کو گیس کی فراہمی شروع ہوجائے گی۔ ایم ڈی مبین صولت کے مطابق ٹاپی منصوبے سے افغانستان کو 500 ملین کیوبک فیٹ یومیہ ، پاکستان کو ایک ارب 32کروڑ اور ہندوستان کو بھی ایک ارب 32 کروڑ کیوبک فٹ یومیہ گیس ملے گی، ہندوستان سالانہ 200 تا 250 ملین ڈالر ٹرانزٹ فیس پاکستان کو ادا کرے گا، پاکستان یہی رقم بطور ٹرانزٹ فیس افغانستان کو ادا کردے گا. ان کا کہنا تھا کہ تاپی گیس منصوبے پر 10 ارب ڈالر لاگت آئے گی، گیس پائپ لائن منصوبے کے 5 فیصد شئیرز پاکستان نے اور 5 فیصد ہندوستان نے خریدے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ترکمانستان نے گیس فیلڈ ڈویلپ کرنے کے لیے جاپان سے معاہدہ کرلیا ہے، جاپانی ماہرین ترکمانستان میں گیس فیلڈ ڈیولپ اور آپریٹ کریں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ مستقبل میں ہندوستان اور پاکستان کے حالات اس منصوبے پر اثرانداز نہیں ہوں گے، معاہدے کے مطابق پاکستان کے راستے گیس پائپ لائن ہندوستان میں داخل ہوگی، ہندوستان نے اگر گیس خریدنے یا اس منصوبے سے علیحدگی اختیار کی تو معاہدے کے تحت ترکمانستان ہندوستان پر جرمانہ عائد کرنے کا مجاز ہے۔ واضح رہے کہ ترکمانستان کے صدر قربان? قلی بردی? محمدوف نے گزشتہ ماہ اندرون ملک گیس پائپ لائن کی تعمیر کے احکامات جاری کیے تھے۔ ایم ڈی انٹرسٹیٹ گیس سسٹم مبین صولت کا کہنا ہے کہ آئندہ تین سالوں میں 10 ارب ڈالر مالیت کے تین منصوبے فاسٹ ٹریک پر مکمل کئے جائیں گے جس کے بعد پاکستان میں گیس بحران ختم ہوجائے گا۔ ایم ڈی انٹرسٹیٹ گیس سسٹم مبین صولت نے مز ید بتایا کہ انٹرسٹیٹ گیس سسٹم آئندہ 3 سے 4 سال میں 10 ارب ڈالر مالیت کے 3 منصوبے گوادر ایل این جی ٹرمینل، گوادر تا نوابشاہ گیس پائپ لائن اور کراچی تا لاہور 1100 کلومیٹر ایل این جی پائپ لائن فاسٹ ٹریک بنیادوں پر مکمل کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں گیس کی قلت 2 ارب کیوبک فٹ یومیہ ہے جبکہ ان منصوبوں کے ذریعے 3.5 تا 4 ارب کیوبک فٹ یومیہ گیس سسٹم میں شامل ہوگی، ان منصوبوں کے مکمل ہونے سے پاکستان میں گیس بحران ختم ہوجائے گا۔ مبین صولت کے مطابق گوادر تا نوابشاہ پائپ لائن اضافی صلاحیت کی تعمیر کی جارہی ہے جس سے ناصرف گوادر ایل این جی ٹرمینل سے 500 تا 700 ملین کیوبک فٹ گیس سسٹم میں شامل ہوگی بلکہ اسی پائپ لائن کے ذریعے ایران سے خریدے جانے والی گیس بھی سسٹم میں شامل ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ ایران سے 750 ملین کیوبک فٹ کی بجائے ایک ارب کیوبک فٹ گیس خریدنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، ایران نے ایک ارب کیوبک فٹ گیس فروخت کرنے پر رضا مندی بھی ظاہر کر دی ہے، آئندہ سال عالمی پابندیاں ختم ہوتے ہی ایران کے ساتھ باضابطہ نیا معاہدہ کیا جائے گا۔

شہر قائد میں رینجرز کے اختیارات میں توسیع کا معاملہ حل ہو گیا

شہر قائد میں رینجرز کے اختیارات میں توسیع کا معاملہ حل ہو گیا ہے۔ذرائع کے مطابق کراچی کی سیکیورٹی پر ہونے والے اہم اجلاس میں وزیر اعظم نے وزیر اعلیٰ سندھ کو رینجرز کے اختیارات میں توسیع کے فیصلے پر رضا مند کر لیا جس پر سید قائم علی شاہ نے نواز شریف کو رینجرز کے اختیارات میں توسیع کی یقین دہانی کرادی اور جلد ہی نوٹیفکیشن جاری ہونے کا امکان ہے۔میڈ یا رپورٹس کے مطابق اجلاس میں وفاقی وزیر داخلہ نے کراچی میں رینجرز کے اختیارات میں توسیع کے معاملے میں تاخیر کرنے پر سندھ حکومت کو تنقید کا نشانہ بنا یا۔چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ اگر رینجرز کے اختیارات میں توسیع کے معاملے پر سندھ حکومت کو مسئلہ تھا تو پہلے ہی حل کرلیتے ،اس طرح عوام میں کراچی آپریشن اور قومی اداروں کو متنازعہ بنانا ٹھیک نہیں ہے۔ کراچی کی سیکیورٹی پر ہونے والے اپیکس کمیٹی کے اہم اجلاس کے بعد وزیر داخلہ چوہدری نثار کی زیر صدارت بھی اہم اجلاس ہو گا جس میں شہر کے مستقبل کے بارے میں اہم فیصلے کیے جائیں گے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ اس اجلاس کے بعد رینجرز کے اختیارات میں توسیع کا باقاعدہ اعلان کیا جائے گا

ایدھی فاونڈیشن کے سربراہ عبدالستار ایدھی کا اہم فیصلہ

ایدھی فاونڈیشن کے سربراہ عبدالستار ایدھی نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ میں نے بیماری اور بڑی عمر اور بلقیس ایدھی کی بیماری کی وجہ سے ایدھی فاونڈیشن کی تمام ذمہ داریاں اور سارے کام اپنے بیٹے فیصل ایدھی کے سپرد کر دئیے ہیں۔تفصیلات کے مطابق انہوں نے کہا کہ میں نے گزشتہ پچیس سالوں سے اپنی زیر نگرانی فیصل ایدھی کی تربیت کی اور مجھے خوشی ہے کہ اپنے ایمانداری ،خلوص اور محنت سے اپنے آپ کو میرا صحیح جانشین ثابت کر دیا ہے اور مجھے امید ہے کہ میرے انسانیت کے اس مشن کو آگے بڑھائے گا اور میر ی بیٹی کبریٰ ایدھی اس کی معاونت کرتے ہوئے انسانیت کے مشن کیلئے خدمات سرانجام دیتے رہیں گے۔

جنرل راحیل شریف نے کراچی میں سیاستدانوں کوحیران کردیا

آرمی چیف نے شہرقائد میں سیاستدانوں کوحیران کردیا،شہری خوش ہوگئے۔آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے کراچی آپریشن کے نتیجے میں قائم امن و امان پراعتماد کے اظہار کیلئے گاڑی کے شیشے نیچے کر کے سفر کیا۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم نواز شریف کی زیر صدارت گورنر ہاو¿س کراچی میں ایپکس کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں آرمی چیف جنرل راحیل شریف بھی شریک تھے۔ ذرائع کے مطابق آرمی چیف اجلاس میں شرکت کے بعد جب گورنر ہاوس سے روانہ ہوئے تو انہوں نے گاڑی کے شیشے نیچے کر کے سفر کیا۔ اس دوران کور کمانڈر کراچی بھی ان کے ہمراہ تھے۔

Google Analytics Alternative