قومی

طالبان کے ساتھ مذاکرات کئے جائیں”عمران خان”

اسلام آباد : پاکستان تحریک انصا ف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے اگر ان کی پارٹی 2018ء کے عام انتخابات میں ہاری تواس صورت میں ان کے پاس پارٹی کا چیئرمین رہنے کا کوئی جواز نہیں رہے گا ، پارٹی کی آواز وہاں تک پہنچ گئی جہاں تک پارٹی نہیں پہنچی، دھرنے کے دوران آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے ثالث بننے کی پیشکش کی تھی اور دھرنا ختم کرنے کا کہا تھا، جوڈیشل کمیشن کے فیصلے پر مایوسی ہوئی ہے، وزیراعظم نواز شریف کی زبان پر اعتبار نہیں کیا جا سکتا، وہ اقتدار میں آ کر پیسہ بناتے ہیں، (ن) لیگ نے الیکشن کمیشن سے مل کر 2013ء میں دھاندلی کی، میں اینٹی وار ہوں، اس کا مطلب یہ نہیں کہ میں طالبان کا حامی ہوں، دہشت گردی کو صرف جنگ سے ختم کرنے کی کوشش کی گئی تو یہ کبھی ختم نہیں ہوگی بلکہ مزید بڑھے گی ، ایک جگہ آگ بجھاتے بجھاتے چار اور جگہ پر آگ لگ جاتی ہے،ہر حال میں طالبان کے ساتھ مذاکرات کئے جائیں، لوگ کیا کہتے ہیں مجھے کوئی پرواہ نہیں میں لوگوں کی مرضی سے شادی کرتا ہوں اور نہ ہی طلاق دیتا ہوں۔وہ نجی ٹی وی چینل کو انٹرویو دے رہے تھے ۔ پاکستان تحریک انصا ف کے چیئرمین عمران خان نے کہا کہ حکومت نے ڈیزل پر 100فیصد ٹیکس لگا دیا ہے، نواز شریف کی جمہوریت پرویز مشرف کی آمریت سے بھی بدتر ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں جنرل راحیل شریف نے ثالث بننے کی پیشکش کی تھی، 2015ء میرے لئے بہتر سال تھا، جوڈیشل کمیشن کے فیصلے پر مایوسی ہوئی ہے، ہر حال میں طالبان کے ساتھ مذاکرات کئے جائیں،

وقار النساءکالج، میڈیا کے افسوس ناک رویے سے عوام میں بے چینی

راولپنڈی میں واقع وقار النساءگرلز کالج کے قریب فائرنگ کی آوازیں سن کر طالبات میں بھگدڑ مچ گئی جس میں متعدد طالبات زخمی ہوگئیں ۔
واقع کے رونما ہوتے ہی پاکستان کے مختلف ٹی وی چینلز نے بلا تحقیق وقار النساءگرلز کالج پر حملے کی خبر نشر کر دی جس کے بعد گھروں میں موجود والدین انتہائی خوف و پریشانی میں مبتلا ہو گئے۔
مگر جب حقیقت سامنے آئی تو پتا چلا کہ راولپنڈی پولیس کار چوروں کا تعاقب کررہی تھی اور وقارالنساءگرلز کالج کے قریب چوروں نے پولیس موبائل پر فائرنگ کردی جبکہ پولیس کی طرف سے بھی جوابی فائرنگ کی گئی۔ فائرنگ کی آوازیں سن کر علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا جبکہ وقار النسا کالج میں بھگدڑ مچ گئی۔ خوف کے عالم میںطالبات نے کالج کی دیواریں پھلانگنے کی کوشش کی جس کی وجہ سے متعدد طالبات زخمی ہوگئیں۔
پاکستانی میڈیا کو چاہیے کی وہ عوام کو باخبر رکھے نہ کہ اس طرح کی بے بنیاد خبریں نشر کر کے عوام کو پریشان کرے۔

پاکستان میں پائیدارامن قائم کرینگے”جنرل راحیل شریف”

راولپنڈی: چیف آف آرمی سٹاف جنرل راحیل شریف نے دشمنوں کے مذموم عزائم ناکام بنانے اورپاکستان کی سرزمین سے دہشتگردوں کاخاتمہ کرنے کے عزم کااظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ دشمن ایجنسیاں دہشتگردوں کو بیرو ن ملک سے فنڈز جبکہ ملک کے اندر ان کے ہمدردپناہ فراہم کرتے ہیں،دہشتگردی کیخلاف جنگ پیچیدہ ہے، پوری قوم کے متفقہ رد عمل کی ضرورت ہے، متاثرہ علاقوں کے بے گھر ہونیوالے افراد کی خوشحالی کیلئے علاقہ میں دیرپااستحکام اورسماجی واقتصادی بحالی کی غرض سے تمام کوششیں اوروسائل بروئے کارلائے جائیں گے۔آئی ایس پی آر کے مطابق بدھ کوکورکمانڈرزکانفرنس کاانعقاد جنرل ہیڈکوارٹرز میں ہوا،چیف آف آرمی سٹاف جنرل راحیل شریف نے اجلاس کی صدارت کی۔اجلاس کے شرکاء نے افغانستان میں مفاہمتی عمل اورپاک چین اقتصادی راہداری کو سیکیورٹی کی فراہمی سمیت اندرونی اورعلاقائی سیکیورٹی صورتحال کاتفصیلی جائزہ لیا۔اجلاس کے شرکاء نے آپریشنز کی وجہ سے عارضی طورپر بے گھر ہونیوالے افراد کی بروقت اورباوقاراندازمیں واپسی کی اہمیت پرتبادلہ خیال کیا۔ آرمی چیف نے اس عزم کااعادہ کیا کہ متاثرہ علاقوں کے بے گھر ہونیوالے افراد کی خوشحالی کیلئے علاقہ میں دیرپااستحکام اورسماجی واقتصادی بحالی کی غرض سے تمام کوششیں اوروسائل بروئے کارلائے جائیں گے۔ جنرل راحیل شریف نے اجلاس کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان نے آپریشن ضرب عضب کے دوران غیرمعمولی کامیابیاں حاصل کی ہیں لیکن یہ ایک پیچیدہ جنگ ہے جس کیلئے ٹھوس اورمتفقہ رد عمل کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہاکہ دہشتگردوں کودشمن ایجنسیوں کی جانب سے بیرونی طورپرفنڈز فراہم کئے جاتے ہیں جبکہ ملک کے اندران کے ہمدرد موجود ہیں جو انہیں پناہ فراہم کرتے ہیں۔ آرمی چیف نے اس عزم کااعادہ کیا کہ ہم اپنے دشمنوں کے مذموم عزائم کوشکست دینگے اورپاکستان کی سرزمین سے دہشتگردوں کاخاتمہ کرینگے۔ انہوں نے کہاکہ پوری قوم کی ہمت اورہماری سیکیورٹی فورسز کی پیشہ وارانہ صلاحیت ہمارا حقیقی اثاثہ ہیں اور مجھے قوی امید ہے کہ ہم پاکستان میں پائیدارامن قائم کرنے میں کامیاب ہونگے۔

روس اور فرانس میں اسلام تیزی سے پھیل رہا ہے”راجہ ظفر الحق”

اسلام آباد : سینیٹ میں قائد ایوان سینیٹر راجہ ظفر الحق نے کہا ہے کہ نہ صرف مسلمانوں بلکہ پوری دنیا کو داعش جیسے بہت بڑے فتنے کا سامنا ہے جس کا مقابلہ صرف ہتھیاروں سے نہیں بلکہ دلائل، تعلیم کے فروغ اور اسلام کی حقیقی تعلیمات کو اجاگر کر کے ہی کیا جا سکتا ہے۔ روس اور فرانس سمیت دنیا کے مختلف ملکوں میں اسلام تیزی سے پھیل رہا ہے۔ بدھ کو کنونشن سنٹر میں پاکستان علماء کونسل کے زیر اہتمام پیغام اسلام کانفرنس کے افتتاحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ فرقہ واریت سے بالاتر اور اسلام کا حقیقی پیغام اجاگر کرنے کے لئے ایسی کانفرنسوں کا انعقاد خوش آئند ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس کانفرنس کے انعقاد سے دنیا کو مسلمانوں کے جذبات اور خیالات جاننے میں مدد ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ آج اس کانفرنس میں مفتی اعظم فلسطین بھی موجود ہیں۔ قائداعظم نے 1924ء میں فلسطین کے مظلوم مسلمانوں کی مدد کے لئے فنڈ قائم کیا جس میں مسلمانوں نے بڑھ چڑھ کر حصہ لیا، تب سے ہم فلسطینیوں کے ساتھ ہیں اور کسی بھی طرف سے ہونے والی مخالفت کی پرواہ نہ کرتے ہوئے ہم ہمیشہ ان کا ساتھ دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی بنیاد علامہ اقبال کا دو قومی نظریہ ہے۔ 1931ء میں علامہ اقبال نے کہا تھا کہ مسلمانوں کو غیر مسلموں سے نہیں بلکہ نام نہاد گمراہ مسلمانوں سے خطرہ ہوگا۔ آج داعش اور ان کے حمایتیوں کی صورت میں نہ صرف مسلمان بلکہ دنیا کو ایک بہت بڑے فتنے کا سامنا ہے۔ ان کا مقابلہ صرف ہتھیاروں سے نہیں دلائل، تعلیم کے فروغ اور اسلام کی حقیقی تعلیمات کو اجاگر کر کے کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک ایسا بیانیہ مرتب کرنے کی ضرورت ہے جس سے حقیقی اسلام کا چہرا اجاگر ہو سکے۔ کسی ایک کانفرنس کے انعقاد سے یا کسی ایک خطے اور شہر میں اس طرح کی کوششوں سے یہ مسئلہ حل نہیں ہوگا بلکہ اس کے لئے جامع اور ہمہ گیر سطح پر کام کرنے کی ضرورت ہے۔ ا

وزیر اعظم نے گیس پائپ لائنز کی ناقص کارکردگی پرایکشن لے لیا

فیصل آباد:  سوئی ناردرن گیس پائپ لائنز کی ناقص کارکردگی اور بڑھتی ہو ئی صارفین کی شکایات کا وزیر اعظم میاں نواز شریف نے نوٹس لے لیا ، صارفین کی سہولت کے لئے کنزیومر سروس سنٹر میں one window آپریشن شروع کرنے کا حکم دیدیا تا کہ صارفین کے مسائل کوایک ہی چھت تلے حل کیا جا سکے آن لائن کے مطابق حالیہ موسم سرما میںسوئی ناردرن گیس پائپ لائنز کی انتظامیہ اپنے صارفین کو گیس سپلائی کی فراہمی کرنے ان کی شکایات کو 24گھنٹوں میں حل کرنے میںبری طرح ناکام رہی ہے جس کا وزیر اعظم میاں نواز شریف نے نوٹس لےتے ہوئے بورڈ آف ڈائریکٹرز اور انتظامیہ کوہدایت کی ہے کہ وہ صارفین کی خدمت کو اپنی اولین ترجیح بنائیںاس سلسلہ میں سوئی ناردرن گیس پائپ لائنز فیصل آباد کے جی ایم امجدممتازنے اپنے صارفین کی سہولت کے لئے کنزیومر سروس سنٹر میں one window آپریشن شروع کر دیا ہے تا صارفین کے مسائل کوایک ہی چھت تلے حل کیا جا سکے۔جس میں نئے کنکشن کے حصول کے لئے درخواست ،دیمانڈ نوٹس کا اجرائ،کنکشن کی بحالی ،بل درستگی،خراب میٹر کی تبدیلی،وغیرہ کے علیحدہ علیحدہ کاﺅنٹرز بنائے گئے ہیں جس میں صارف ایک ہی چھت تلے اپنے تمام مسائل حل کروا سکتا ہے ماضی میں صارفین کو اپنے مسائل کے حل کے لئے ایک دفتر سے دوسرے دفتر کے چکر لگانے پڑتے تھے جس سے کسٹمرز کے قیمتی وقت کا ضیاع ہوتا تھا مزید برآں ان سہولتوں کو مزید بہتر بنانے کے لئے ایک ماڈل کسٹمر سروس سنٹر زیر تعمیر ہے جس میں جدید ترین سہولتیں متعارف کروائی جائیں گی جو جلد ہی کام شروع کر دے گا ۔

عمران خان اور طاہرالقادری کی گرفتاری کے وارنٹ جاری

اسلام آباد :  وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کی مقامی عدالت نے دھرنوں کے دوران دفعہ ایک سو چوالیس کی خلاف ورزی پر پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان،پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ طاہرالقادری سمیت ستائیس رہنماؤں کی گرفتاری کے وارنٹ جاری کردیئے۔

اسلام آباد کی عدالت میں علاقہ مجسٹریٹ وقاص رشید نے اسلام آباد میں تحریک انصاف کے دھرنے کے دوران دفعہ 144 کے تحت لاؤڈ اسپیکر ایکٹ کی خلاف ورزی سے متعلق کیس کی سماعت کی، سماعت کے دوران ڈی جے بٹ کے خلاف عبوری چالان پیش کیا گیا، جس پر ڈی جے بٹ کے وکیل کی جانب سے مؤقف اختیار کیا گیا کہ ان کا موکل قانون اور عدلیہ کا احترام کرتا ہے۔

ڈی جے بٹ کے وکیل کا مزید کہنا تھا کہ اس مقدمے میں عمران خان اور طاہر القادری سمیت ستائیس دیگر ملزمان بھی نامزد ہیں، لیکن اس کے باوجود صرف ان ہی کے موکل کو نشانہ بنایا جارہا ہے، ڈی جے بٹ کے وکیل کی دلیل پر استغاثہ کی جانب سے درخواست کی گئی کہ کیس میں نامزد دیگر افراد کو بھی عدالت طلب کیا جائے۔

بعد ازاں عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد ڈی جے بٹ کی مقدمے میں بریت کی درخواست مسترد کرتے ہوئے عمران خان ، طاہر القادری، اسد عمر،سیف اللہ نیازی اور خرم نواز گنڈا پور سمیت ستائیس افراد کے وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے۔

PEMRA نے دو ٹی وی چینلز کے لائسنس معطل کر دیئے

اسلام آباد: پیمرا اتھارٹی نے اپنے ہیڈکوارٹرز اسلام آباد میں منعقدہ 109ویں اجلاس میں رائل ٹی وی کا لائسنس اور نشریات معطل کرنے کی منظوری دیدی۔ معطلی کا فیصلہ چینل کی جانب سے پیمرا کا عائد کردہ جرمانہ ادا نہ کرنے اور اینکرپرسن مبشر لقمان کے خلاف انتہائی لغو اور نازیبا زبان استعمال کرنے پر مناسب معافی نشر نہ کرنے کی بنا پر کیا گیا۔ فیصلہ میں کہا گیا ہے کہ رائل ٹی وی چینل کا لائسنس اتھارٹی کے تمام فیصلہ جات کی مکمل پاسداری نہ ہونے تک معطل رہے گا۔یاد رہے کہ پیمرا کونسل آف کمپلینٹس لاہور نے اپنے 11جنوری 2016 ؁ء کے اجلاس میں رائل ٹی وی کے دو پراوگراموں “Issue of the Day”مؤرخہ 25اور 26نومبر 2015 میں اینکرپرسن مبشر لقمان کے خلاف انتہائی فحش، غیر اخلاقی اور لغو زبان استعمال کرنے اور براہِ راست نشریات میں مؤثر تاخیری نظام نہ ہونے کی وجہ سے چینل پر ایک لاکھ روپے جرمانہ عائد کرنے اور پندرہ یوم میں جرمانہ ادا نہ کرنے کی صورت میں رائل ٹی وی کا لائسنس معطل کرنے کی سفارش کی تھی جسے چیئرمین پیمرا نے اتھارٹی کے تفویض کردہ اختیارات کی روشنی میں منظور کر لیا تھا۔ چونکہ چینل جرمانہ کی ادائیگی اور مناسب معافی نشر کرنے میں ناکام رہا لہٰذا پیمرا اتھارٹی نے متفقہ طور پر رائل ٹی وی چینل کا لائسنس معطل کرنے کی منظوری دیدی ہے ۔اتھارٹی نے پیمرا ایکٹ 2007کے سیکشن 28کی خلاف ورزی اور گذشتہ دو سال سے بلا جواز اور بغیر اتھارٹی کی اجازت کے سوھنی دھرتی ٹی وی چینل کی نشریات کی معطلی کا نوٹس لیتے ہوئے سوھنی دھرتی ٹی وی چینل کا لائسنس بھی معطل کر دیا ہے۔ اتھارٹی کی جانب سے بارہا مناسب مواقع فراہم کرنے کے باوجود سوھنی دھرتی ٹی وی چینل اتھارٹی کے فیصلوں کی پاسداری میں ناکام رہا۔جبکہ روہی ٹی وی چینل کی منسوخی کا کیس اتھارٹی نے دوبارہ متعلقہ کونسل آف کمپلینٹس کو نظر ثانی کیلئے بھجوا دیا ہے اتھارٹی کے مزید اہم فیصلوں میں نیو ٹی وی اور اردو-ون چینل کی مینجمنٹ کی تبدیلی کی درخواستوں کی منظوری اور ڈان نیوز انگلش چینل کے لائسنس کو میسرز سٹی نیوز نیٹ ورک کمپنی کو منتقل کرنے کی منظوری بھی شامل ہے۔ ملک کے طول وعرض میں کیبل آپریٹرز کیلئے لائسنس کے حصول کو سہل بنانے کیلئے اتھارٹی نے غیر ضروری دستاویزات کی کمی کی بھی منظوری دیدی ہے جس سے مستقبل میں کیبل ٹی وی لائسنس کے حصول میں آسانی ہو گی۔ اتھارٹی کے اجلاس میں چیئرمین پیمرا ابصار عالم، سیکریٹری اطلاعات صبا محسن رضا ، چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو نثار محمد خان ، اور محترمہ شاہین حبیب اﷲ شریک تھیں ۔جبکہ نرگس ناصرصاحبہ نے دبئی سے وڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شرکت کی۔

نواز شریف صاحب گونگا اور بہر ہ گورنر تعینات کرنے سے گریز کریں

جنوبی وزیرستان: فاٹا کے اراکین پارلیمنٹ نے صوبہ خیبرپختون خوا میں گورنر کی تعیناتی پر بھرپور احتجاج کرتے ہوئے وزیراعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ کے پی کے میں گونگا اور بہر ہ گورنر تعینات کرنے سے گریز کریں۔بصورت دیگر فاٹا کے اراکین پارلیمنٹ بھرپور احتجاج کریں گے۔منگل کے روز میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے فاٹا کے سنیٹر مولانا محمد صالح شاہ کا کہناتھا کہ صوبہ خیبرپختون خواہ کی اہمیت دیگر صوبوں سے بہت زیادہ ہے ۔اس کی وجہ فاٹا کے سات قبائلی علاقوں اور ایف آر کے علاقے ہیں۔ان کا کہناتھا کہ صوبہ خیبرپختون خواہ کی گورنر کا پوسٹ نہایت اہمیت رکھتا ہے۔اگر فاٹا کے حالات اور روایات سے واقف گورنر تعینات ہوتا ہے تو فاٹا میں امن و امان کی صورتحال بہت جلد بہتر ہوتے ہیں۔اگر کے پی کے میں ایسا گورنر تعینات ہوتا ہے جو فاٹا کے حالات و روایات سے نا واقف ہو تا ہے تو وہ فاٹا کے قبائلی علاقوں کے لئے جلتی پر تیل کا کردار ادا کرتا ہے۔ان کا کہناتھا کہ ہم فاٹا کے اراکین پارلیمنٹ نے فیصلہ کیا ہے کہ صوبہ خیبرپختون خواہ میں گونگا بہرہ گورنر کی تعیناتی کی صورت میں بھرپور احتجاجی تحریک چلائیں گے۔ سینیٹر مولانا محمد صالح شاہ نے چیف آف آرمی سٹاف جنرل راحیل شریف سے بھی اپیل کی کہ وہ KPK میں فاٹا کے روایات کو جاننے والا گورنر کی تعیناتی میں کردار ادا کریں۔

Google Analytics Alternative