قومی

لاہورمیں ڈبل ڈیکر بسیں آگئیں، ٹرمینل بھی تیار، افتتاع ابھی تک نہ ہوسکا

لاہور کی سیاحت کے شوقین حضرات کا انتظار طول پکڑ گیا ہے، پنجاب حکومت نے شہریوں کو تاریخی مقامات کی سیر کرانے کیلئے ڈبل ڈیکر بسیں منگوالیں، ٹرمینل بھی تیار ہو گیا، مگر 20دن گزر گئے، بسیں سڑکوں پر نظر نہیں آرہیں۔قذافی اسٹیڈیم کے نزدیک قائم بس ٹرمینل میں کھڑی یہ ہیں ڈبل ڈیکر بسیں جنھیں اہک ہفتہ قبل لاہور کی سڑکوں پر رواں دواں ہونا تھا، وزیر اعلی کی مصروفیت کے باعث ان کا افتتاح تاحال نہیں ہوسکا، ان بسوں پر مسافر تو نہیں بیٹھے تاہم گرد ضرور جم گئی ہے۔ یہی نہیں چادروں سے بھی انہیں ڈھانپا نہیں جاسکا، سیاحت کے دلدادہ ان بسوں کا انتظار کرتے کرتے تھک گئے ہیں۔ ادھر ٹوارزم ڈیپارٹمنٹ کا کہنا ہے کہ روٹس ابھی تک کلئیر نہیں ہوئے اس لیے بسیں نہیں چلائی جا رہیں، بسوں کی سیکورٹی خواتین گارڈز کے سپرد ہے جو اپنی ڈیوٹی سے بہت خوش ہیں ڈرائیور بھی بسیں چلانے کے لیے بیتاب ہیں۔ شہریوں کا کہنا ہے کہ ٹورازم ڈیپارٹمنٹ مزید تاخیر نہ کرے، یہ نہ ہوکہ نئی نویلی بسیں کھڑے کھڑے کھٹارہ بن جائیں۔

وفاقی دار الحکومت میں بلدیاتی انتخابات ،پولنگ سٹیشنز پرفوج تعینات کی جائے گی

چیف الیکشن کمشنر سردار رضا خان کی زیر صدارت اجلاس میں وفاقی دار الحکومت میں بلدیاتی انتخابات کے حوالہ سے انتظامات کا جائزہ لیا گیا، اجلاس کے بعد جاری اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ اسلام آباد کی 62 عمارتوں میں حساس ترین پولنگ اسٹیشنز پر فوج تعینات ہو گی، آئی جی پولیس کے سکیورٹی پلان کے مطابق ہر پولنگ اسٹیشن پر رینجرز تعینات ہو گی، جمعرات کے بعد کسی پولنگ اسٹیشن پر شکایات سے متعلق تبدیلی نہیں لائی جائیگی۔ تمام آر اوز تمام 640 پولنگ اسٹیشنوں پر پولنگ صبح 7 بجے شروع ہونے کو یقینی بنائیں۔ اعلامیہ میں آر اوز کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ پریذائیڈنگ افسران کو بیلٹ پیپرز کی فراہمی کے وقت ان کو چیک کریں تاکہ کسی غلطی کا احتمال نہ ہو، چیف الیکشن کمشنر نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پر امن اور شفاف انتخابات کے انعقاد پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہو گا، ڈی آر او اسلام آباد نے حساس پولنگ سٹیشنز پر فوج اور رینجرز کی تعیناتی کی درخواست کی ہے، سرکاری ملازمین کو سیاسی جماعتوں اور امیدواروں کے دباو¿ میں نہیں آنا چاہئے۔آئی جی اسلام آباد نے کمیشن کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ اسلام آباد میں سکیورٹی کیلئے فول پروف انتظامات کئے گئے ہیں۔ اسلام آباد میں 7752 پولیس اہلکار فرائض سر انجام دینگے، اسلام آباد میں پنجاب پولیس اور آزاد کشمیر کے پولیس اہلکار بھی ڈیوٹی سر انجام دینگے۔

ملک میں سودی نظام کے خاتمے کا بل قومی اسمبلی میں پیش

پاکستان کی اہم مذہبی و سیاسی جماعت جماعت اسلامی نے ملک میں سودی نظام کے خاتمے کا بل قومی اسمبلی میں پیش کردیا۔حکومت کی جانب سے مخالفت نہ کرنے پر سپیکر ایاز صادق نے بل بحث کیلئے قائمہ کمیٹی کو بھجوادیا۔منگل کو سپیکر ایاز صادق کی زیر صدارت قومی اسمبلی کا اجلاس شروع ہوا تو جماعت اسلامی کے رہنماطارق عبداللہ نے سودی نظام کے خاتمے کا بل 2015ءایوان میں پیش کیا۔کابل کے متن میں سودی نظام کے خاتمے کیلئے قوانین میں 26ترامیم کی تجاویز دی گئی ہیں۔مقامی میڈیا کے مطابق جمع ہونے کے بعد تحریک انصاف کی سیکرٹری اطلاعات ڈاکٹر شیریں مزاری نے توجہ دلاﺅ نوٹس پیش کرنے کی اجازت طلب کی جس پر سپیکر اسمبلی نے سخت ناراضی کااظہار کرتے ہوئے کہاکہ آپ کی جماعت کے اراکین بل جمع کرانے سے پہلے ہی باہر جاکر میرے خلاف باتیں کرتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ آپ کے اراکین 6چھ مہینے تک غیر حاضر رہتے ہیں ، قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں شرکت نہیں کرتے اورالزام سپیکر کو دیتے ہیں۔سپیکر ایاز صادق کا کہنا تھا کہ اراکین سے کہیں کہ ایوان میں آکر کام کریں تو کام ہوگا ، اب باتیں بنانا چھوڑ دیں ، ڈاکٹر صاحبہ آپ کو جاناہے اس لیے نوٹس پیش کرنے کی اجازت دیتا ہوں۔انہوں نے مزید کہاکہ اگر زبردستی کی بات کی تو قانون کے مطابق چلوں گا جبکہ پیار سے جان بھی دے دوں گا ، ان کا کہنا تھا کہ کل میرے بارے میں حقائق کے منافی باتیں کی گئیں۔واضح رہے کہ اس سے قبل سودی نظام کے خاتمے کیلئے سپریم کورٹ آف پاکستان میں بھی ایک پٹیشن دائر کی گئی تھی تاہم عدالت نے یہ کہتے ہوئے اسے خارج کردیا تھا کہ جسے سود نہیں دینا وہ نہ دے ، جو دے گااسے اللہ پوچھے گا۔

نواز شریف کا شہید پائلٹ مریم کے والد سے تعزیت کا اظہار

اسلام آباد:وزیر اعظم نواز شریف نے شہید خاتون پائلٹ مریم مختار کے والد کو ٹیلی فون کیا ہے . وزیر اعظم نواز شریف نے شہید پائلٹ مریم کے والد سے تعزیت کا اظہار کیا جس پر مریم مختار کے والد کرنل ریٹائرڈ مختار احمد کا کہنا تھا کہ مریم میری ہی نہیں آپ کی بھی بیٹی تھی. وزیر اعظم نواز شریف نے کہا کہ مریم میری نہیں پوری قوم کی بیٹی تھی، انہوں نے کہا کہ مریم کی بے مثال قربانی پوری قوم کی بخشش کا سبب بنے گی . یاد رہے کہ گذشتہ روز میانوالی میں پاک فضائیہ کا ایک تربیتی طیارہ گر کر تباہ ہو گیا تھا جس کے نتیجے میں خاتون پائلٹ مریم مختار شہید جبکہ ان کے ہمراہ موجود اسکوارڈن لیڈر زخمی ہو گئے تھے.

کراچی میں رینجرز کی کارروائی میں 4دہشت گرد ہلاک

کراچی نادرن بائی پاس پر رینجرز اور دہشت گردوں کے درمیان مقابلے کے بعد 4دہشت گرد ہلاک اور ایک رینجرز اہلکار زخمی ہوگیا۔ترجمان رینجرز کے مطابق رینجرز کی جانب سے دہشت گردوں کی موجودگی کی خفیہ اطلاع پر نادرن بائی پاس کے قریب کاروائی کی گئی، جہاں کاروائی کے دوران دہشت گردوں نے فائرنگ کردی، تاہم جوابی کاروائی میں 4دہشت گرد ہلاک ہوگئے جبکہ ایک رینجرز اہلکار زخمی ہوگیا۔ ترجمان کے مطابق ہلاک ہونے والے دہشت گردوں کی شناخت کی جاری ہے۔

تحریک انصاف کا ‘موثر اپوزیشن’ بننے کا فیصلہ

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے گذشتہ 2 سال سے دھرنے اور دیگر ذرائع سے موجودہ حکومت کو گرانے کی تنہا کوششوں میں ناکامی کے بعد فیصلہ کیا ہے کہ وہ قومی اسمبلی میں ایک مو¿ثر حزب اختلاف کے لیے اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ سے رابطہ کرے گی۔مذکورہ فیصلہ پی ٹی ائی کے مرکزی رہنما شاہ محمود قریشی نے پارٹی کے پارلیمانی اراکین کے ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا ہے۔اجلاس میں کہا گیا ہے کہ قومی اسمبلی کے اسپیکر ایاز صادق کا رویہ پی ٹی آئی کے ساتھ غیر جانبدارانہ ہے اور انھوں نے اب تک انھیں چیمبر الاٹ نہیں کیا ہے۔شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ قومی اسمبلی میں کسی بھی ایجنڈے کو ترتیب دینے کے حوالے سے پی ٹی آئی کو نظر انداز کیا جاتا ہے اور گذشتہ ڈھائی سالوں میں پارٹی کی جانب سے کسی بھی قرار داد پر کی جانے والی تجویز کو اس کا حصہ نہیں بنایا گیا ہے اور قومی اسمبلی کے اسپیکر کی جانب سے پی ٹی آئی کو بل پیش کرنے کی اجازت نہیں ہے۔پی ٹی آئی کی جانب سے قومی اسمبلی میں غیر مو¿ثر اور کمزور قانون سازی کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا گیا ہے۔اجلاس کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ مذکورہ اجلاس میں پارٹی کے سینیٹرز بھی موجود تھے اور ان کا کہنا تھا کہ سینیٹ کا ماحول قدر بہتر ہے جہاں اپوزیشن کا مو¿قف سنا جاتا ہے۔شاہ محمود نے کہا کہ ’اس کے باوجود کے قومی اسمبلی کے اسپیکر اچھے طریقے سے پیش آتے ہیں لیکن وہ ہمارے ایم این ایز کو سہولیات فراہم نہیں کرتے، پی ٹی آئی کے پاس کوئی چمبر نہیں ہے لیکن پی پی پی کے استعمال میں دو چیمبر ہیں۔‘انھوں نے کہا کہ ’ہم قومی اسمبلی کی عمارت میں اجلاس نہیں کرسکتے ہیں اور اس نا انصافی کی وجہ سے ہماری صلاحیت متاثر ہورہی ہے۔‘شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ ’ہم نے ایک تحریری درخواست کے ذریعے اسپیکر سے کہا ہے کہ سراج خان اور گلزار خان پی ٹی آئی کو چھوڑ چکے ہیں لہٰذا کوٹے ک مطابق اسٹینڈنگ کمیٹی کی چیئرمین شپ پی ٹی آئی کو دی جائے۔‘ انھوں ںے کہا کہ ’ہم دیکھ رہے ہیں کہ حکومتی بل کسی بحث کے بغیر اسمبلی کے ایجنڈے کا حصہ بن جاتے ہیں جس سے قانون سازی متاثر ہورہی ہے۔ ‘انھوں ںے کہا کہ قومی اسمبلی میں 3 اہم اپوزیشن جماعتیں ہے لیکن صرف پیپلز پارٹی کو ہی اپوزیشن جماعت کے طور پر تصور کیا جاتا ہے۔

لاہور کے علاقے بادامی باغ میں کولڈ سٹوریج سے گیس لیکج’ 83 افراد بے ہوش

لاہور کے علاقے بادامی باغ میں کولڈ سٹوریج سے گیس لیکج کی وجہ سے 83 افراد بے ہوش ہو گئے، 4افراد کی حالت خطرناک ہے ،علاقہ مکین محفوظ مقامات پر منتقل ہو گئے کولڈ سٹوریج کا مالک فرار ہو گیا جبکہ وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہبازشریف نے واقعہ کا نوٹس لیکر تفصیلی رپورٹ طلب کرلی ہے۔تفصیلات کے مطابق بادامی باغ سبزی منڈی کے قریب کولڈ سٹوریج میں پائپ پھٹنے سے امونیا گیس کے اخراج کے باعث اسٹوریج کے ملازمین بے ہوش ہو گئے۔ امونیا گیس پھیلنے سے مقامی رہائشیوں کو سانس لینے میں دشواری کا سامنا رہا۔ریسکیو اہلکاروں نے متاثرہ افراد کو فوری طور پر مختلف ہسپتالوں میں منتقل کیا۔ 35 افراد کو میو ہسپتال ، 45 کو نوازشریف ہسپتال یکی گیٹ جبکہ 3 کو گنگارام اسپتال منتقل کیا گیا۔ وزیراعلیٰ کے مشیرصحت خواجہ سلمان کے مطابق چار افراد انتہائی نگہداشت وارڈ میں ہیں۔مقامی رہائشیوں کے مطابق کولڈ سٹوریج کے باعث علاقے میں رہنا مشکل ہو گیا ہے۔ کچھ عرصہ قبل بھی امونیا گیس کی لیکیج ہوئی تھی، احتجاج کے باوجود انتظامیہ نوٹس نہیں لے رہی۔اڑھائی گھنٹوں کی کوششوں کے بعد کولڈ سٹوریج کی پھٹنے والے پائپ لائن کی مرمت مکمل کر کے گیس کا اخراج روک دیا گیا۔ کولڈاسٹوریج کا مالک صلاح الدین فرار ہو گیا جبکہ فیکٹری کو سیل کر دیا گیا ہے۔وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہبازشریف نے واقعہ کا نوٹس لے لیا ہے اور واقعہ کی جامع رپورٹ متعلقہ حکام سے طلب کرلی ہے۔

شیخ رشید کا دعویٰ اسحاق ڈار نے قسم کھائی ، سچ نہیں بول سکتے

اعوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے دعویٰ کیاہے کہ وفاقی وزیرخزانہ نے دبئی میں ایک نجومی کو اپنا ہاتھ دکھایاتو وہ بے دریغ ہنسا اور ساتھ ہی افسردہ ہوگیا لیکن اس بات کی حقیقت کے بارے میں کچھ نہیں کہاجاسکتاکیونکہ شیخ رشید احمد رانا ثناءاللہ کے بارے میں بھی ایسا ہی دعویٰ کرچکے ہیں۔ نجی ٹی وی چینل سے گفتگوکرتے ہوئے شیخ رشید احمد کاکہناتھاکہ نجومی سے پوچھنے پر اس نے بتایاکہ ہنسا اس لیے ہوں کہ ساری دوڑ کے خاتمے کاوقت آگیاہے اور تیرے اچھے دن آنیوالے ہیں جبکہ رویا اس لیے کہ جس دن تو سچ بولا، وہی تیر ی سیاست کا آخری دن ہوگا، اسی دن سے اسحاق ڈار نے قسم کھائی ہے کہ سچ نہیں بولوں گا۔ شیخ رشید نے دعویٰ کیاکہ ایک اینکرکوحکومت نے نجکاری پر بٹھادیاہے اور اس کی وجہ یہ ہے کہ ان کا ایک بھائی عمران خان کیساتھ چلاگیاتاکہ دوبھائیوں کو الگ الگ مصروف رکھ سکیں اور ان کی عزت میں اضافہ نہ ہوسکے ، اسدعمر زبردست انسان ہیں۔یادرہے کہ شیخ رشید اس سے قبل راناثنائ اللہ کے بارے میں بھی ایسا ہی دعویٰ کرچکے ہیں اور کہاتھاکہ رانا ثناءکی پیدائش کے موقع پر ہاتھ دیکھنے والا جوتشی پہلے ہنسا اور پھر رودیا، جس دن رانا ثناء اللہ نے سچ بولا، سمجھ لیں کہ اسی دن فارغ ہیں۔مزید ’کراری کراری

Google Analytics Alternative