قومی

اداروں کی نااہلی کا یہ مطلب نہیں ہر معاملہ عدالت لے آئیں، اسلام آباد ہائیکورٹ

اسلام آباد ہائیکورٹ نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف درخواست کی سماعت میں کہا کہ اداروں کی نااہلی کا یہ مطلب نہیں ہر معاملہ عدالت لے آئیں۔

اسلام آباد ہائیکورٹ میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف درخواست کی سماعت ہوئی تو ہائیکورٹ نے درخواست گزار پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے استفسار کیا کہ کیا آپ نے عدالت آنے سے پہلے متعلقہ فورم سے رجوع کیا۔

جسٹس محسن اختر کیانی نے کہا کہ قیمتوں کا تعین کرنا عدالتوں کا کام نہیں، جن کا کام ہے انہیں اپنا کام کرنے دیں، قیمتوں کا تعین ہمارا نہیں بلکہ اداروں کا کام ہے، ان کی نااہلی کا یہ مطلب نہیں ہر معاملہ عدالت لے آئیں۔

جسٹس محسن اختر کیانی نے پوچھا کہ یہ بتائیں اوگرا آرڈیننس کے تحت قیمتوں کا تعین کون کرتا ہے۔ درخواست گزار کے وکیل نے لاعلمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میرے پاس اوگرا آرڈیننس موجود نہیں۔ وکیل کے جواب پر عدالت نے برہمی کا اظہار کیا۔

جسٹس محسن اختر کیانی نے کہا کہ کاغذات ہیں نہیں اور منہ اٹھا کر عدالت آجاتے ہیں۔ عدالت نے درخواست کے قابل سماعت ہونے سے متعلق فیصلہ محفوظ کرلیا۔

ڈالر کی اونچی اڑان جاری؛ ملکی تاریخ کی نئی بلند ترین سطح پر جاپہنچا

 کراچی: اوپن مارکیٹ کے بعد انٹر بینک میں بھی ڈالر کو پر لگ گئے ہیں اور اب روپے کے مقابلے میں نئی بلند ترین سطح پر جا پہنچا ہے۔

آئی ایم ایف سے کئے گئے معاہدے کے بعد گزشتہ چند روز سے اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی بڑے پیمانے پر خریداری دیکھی جارہی تھی، گزشتہ روز اوپن مارکیٹ میں ڈالر مزید 2 روپے 25 پیسے اضافے کے بعد 146 روپے 25 پیسے کی بلند ترین سطح پر جاپہنچا تھا تاہم حکومتی اقدامات کے بعد ڈالر دوبارہ 144 روپے پر آگیا تھا۔

جمعرات کے روز انٹر مارکیٹ میں بھی ڈالر کی قدر میں اضافہ دیکھا گیا اور ڈالر کی قیمت خرید میں 5 روپے 61 پیسے کا اضافہ ہوا جس کے بعد انٹر بینک مارکیٹ میں اب ڈالر کی قدر 147 روپے کی بلند ترین سطح پر جا پہنچی تاہم  کاروبار کے اختتام پر ڈالر مجموعی طور پر 5.13 روپے اضافے کے بعد 146.52 پر بند ہوا۔  اس کے علاوہ اوپن مارکیٹ میں بھی ڈالر کی قدر 3 روپے اضافے کے بعد 147 روپے ہوگئی ہے۔

واضح رہے کہ آئی ایم ایف سے کئے گئے معاہدے کے تحت پاکستان کو روپے کی قدر میں 20 فیصد تک کمی کرنا ہے۔ اسی صورت حال کو دیکھتے ہوئے ڈالر کی خریداری کے رجحان میں اضافہ دیکھا جارہا ہے۔

روپے کی قدر میں کمی کیلیے کچھ لوگوں کو برآمد کیا گیا، مریم نواز

لاہور: مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا ہے کہ جان بوجھ کر روپے کی بے قدری کی جارہی ہے اور اس کے لیے کچھ لوگوں کو باقاعدہ برآمد کیا گیا۔

روپے کی قدر میں کمی اور ڈالر کی بڑھتی ہوئی قیمت پر رد عمل دیتے ہوئے مریم نواز نے ٹویٹر پر کہا کہ کسی کو نئے پاکستان کے بارے میں غلط فہمی نہ رہے،  نوازشریف کی قیادت میں روپیہ اور اسٹاک مارکیٹ دونوں مستحکم تھے اور ملکی اسٹاک مارکیٹ دنیا کی مستحکم ترین مارکیٹ تھی، لیکن نئے پاکستان میں اسٹاک مارکیٹ میں روزانہ انڈیکس کا قتل عام ہو رہا ہے۔

مریم نواز کا کہنا تھا کہ نئے پاکستان میں خطرناک حد تک بے روزگاری، گیس اور بجلی سمیت ہرچیز کی قیمت میں اضافہ ہوا، عوام کومہنگائی نےبری طرح کچل دیا، روپے کی قدر میں کمی سے 666 ارب کے قرضے بڑھ گئے، جان بوجھ  کر روپے کی بے قدری کی جارہی ہے اور کچھ  لوگوں کو اس کے لیے برآمد کیا گیا تاکہ روپے کی قدر میں کمی لائی جائے۔

مستونگ میں سی ٹی ڈی کی کارروائی میں 9 دہشت گرد ہلاک

مستونگ: قابو کوہ مہران میں سی ٹی ڈی کی کارروائی میں 9 دہشت گرد ہلاک جب کہ سیکورٹی فورسز کے 4 جوان زخمی ہوگئے۔

مستونگ کے علاقے قابو کوہ مہران میں سی ٹی ڈی نے خفیہ اطلاع پر چھاپا مارا جس پر وہاں موجود دہشت گردوں نے فائرنگ کردی، سی ٹی ڈی کی جوابی فائرنگ کے نتیجے میں 9 دہشت گرد ہلاک ہوگئے جب کہ آپریشن میں سیکورٹی فورسز کے 4 جوان بھی زخمی ہوئے جنہیں اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

سی ٹی ڈی کے مطابق آپریشن کے دوران دہشت گردوں کے ٹھکانوں سے بھاری مقدار میں اسلحہ و گولہ بارود بھی برآمد ہوا ہے جب کہ دہشت گردوں کی لاشوں کو اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

میڈیا سے وابستہ افراد کے مسائل کا حل اولین ترجیح ہے، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ میڈیا صنعت سے وابستہ افراد کے مسائل کا بخوبی احساس ہے ان کا حل اولین ترجیح ہے۔

وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت اعلی سطحی اجلاس ہوا جس میں  معاون خصوصی وزیر اعظم برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان، معاون خصوصی وزیراعظم برائے میڈیا امور یوسف بیگ مرزا، صوبائی وزیر اطلاعات پنجاب سید صمصام بخاری ، سینٹر فیصل جاوید اور وزیر اعظم کے سیکرٹری نے شرکت کی۔

معاون خصوصی وزیر اعظم برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے وزیراعظم کو میڈیا صنعت کے مسائل سے آگاہ کیا جب کہ اجلاس میں پاکستان براڈکاسٹنگ ایسوسی ایشن اور آل پاکستان نیوز پیپرز سوسائٹی کے واجبات کے معاملات بھی تفصیلی طور پرزیر بحث آئے۔

وزیرا عظم نے ہداییت کی کہ واجبات کی ادائیگیوں کے حوالے سے وزارت اطلاعات پی بی اے اور اے پی این ایس کے نمائندگان کے ساتھ فوری مشاورت کرے  اورعید سے پہلے واجبات کی ادائیگی کو یقینی بنانے کے لئے عملی اقدامات کئے جائیں جب کہ معاون خصوصی اطلاعات و نشریات اس عمل کی ذاتی طور پر خود نگرانی کریں ۔

اس موقع پر وزیراعظم کا کہنا تھا کہ آزادی اظہار رائے کے آئینی اور بنیادی حق پر کامل یقین رکھتے ہیں ،آزاد اور ذمہ دار صحافت کا فروغ جمہوریت کی مضبوطی کے لئے ناگریز ہے، مجھے میڈیا صنعت سے وابستہ افراد کے مسائل کا بخوبی احساس ہے ، ان کا حل اولین ترجیح ہے۔

ڈالر کی بڑھتی قیمت کی وجہ امریکا اور چائینہ کے درمیان معاملات ہیں، شاہ محمود قریشی

ملتان: وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ گورنر اسٹیٹ بینک کی بنیادی ذمہ داری ہے کہ وہ ڈالر کے ریٹ کو دیکھیں وزیر خزانہ کا اس سے تعلق نہیں ہوتا۔

ملتان میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ ڈالر کے حوالے سے اسٹیٹ بینک خود مختار ہے اور اسٹیٹ بینک کے گورنر کی بنیادی ذمہ داری ہےکہ وہ ڈالر کی قیمت کو دیکھیں، ملک میں روپے کی قدر کا گرنا اور ڈالر کی قیمت کا بڑھنا وزیر خزانہ کا اس سے تعلق نہیں ہوتا، امریکا اور چائینہ کے درمیان معاملات بھی ڈالر پر اثر انداز ہیں۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ میں قیاس ارائیوں پر بات نہیں کرتا ٹھوس ثبوت اور شواہد کے ساتھ بات کرتا ہوں، نئے چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی کبھی حکومتی عہدے پر نہیں رہے، وہ  ٹیکنوکریٹ ضرور ہیں اور ٹیکس ریونیو کے حوالے سے ماہر ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ سیاسی پارٹیوں کا اپنا فیصلہ ہے وہ احتجاج کرنا چاہتے ہیں تو عید کے بعد اپنا شوق پورا کر لیں۔

معیشت کی بہتری کے لیے سخت فیصلے کیے جارہے ہیں، مشیر خزانہ

کراچی: مشیر خزانہ ڈاکٹر حفیظ شیخ کا کہنا ہے کہ معیشت کی بہتری کے لیے سخت فیصلے کیے جارہے ہیں۔

کراچی میں پریس کانفرنس کے دوران مشیر خزانہ ڈاکٹر حفیظ شیخ کا کہنا تھا کہ ملکی معیشت کی بہتری کے لئے آئی ایم ایف کے پاس گئے، سمجھنا چاہیے کہ جب یہ حکومت آئی توہماری اقتصادی صورتحال کیا تھی، وزیراعظم کی ہدایت پر معاشی ٹیم نے تاجروں سے ملاقات کی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ حالات کو بہتر کرنے کے لیے فیصلے کیے گئے، معیشت کے حالات اچھے نہیں جب کہ آئی ایم ایف سے 6 ارب ڈالر کا معاہدہ ہوا ہے۔

مشیر خزانہ حفیظ شیخ نے کہا کہ شرح نمو کم اور مہنگائی بڑھ رہی ہے، تاجروں سے بجٹ کے معاملے پر بات کی ہے، معیشت کی بہتری کے لیے سخت فیصلے کیے جارہے ہیں تاہم ہم معاشی استحکام کی طرف آ رہے ہیں۔

حکومت کا مارکیٹ سے زائد ڈالر فروخت کرنیوالی کمپنیوں کیخلاف کارروائی کا فیصلہ

اسلام آباد: حکومت نے مارکیٹ سے زائد ڈالر فروخت کرنیوالی ایکسچینج کمپنیوں کیخلاف  کارروائی کا فیصلہ کیا ہے۔

روپے کے مقابلے میں غیر ملکی کرنسیوں کی قدر میں اضافے کے حوالے سے وزیراعظم کی زیرصدارت اعلی سطح کا اجلاس ہوا، اجلاس میں چیئرمین ایف بی آر، گورنر اسٹیٹ بینک، ڈی جی ایف آئی اے اور ڈی جی آئی بی کے علاوہ سیکیورٹی اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان کا وفد بھی شریک ہوا۔ اجلاس میں ایمنسٹی اسکیم کے تحت اثاثے ظاہر نہ کرنے والوں کے خلاف مجوزہ کارروائی پر بھی غور کیا گیا۔

اجلاس کے دوران دی گئی بریفنگ میں بتایا گیا کہ ڈالر کی مارکیٹ قیمت خرید 143 روپے 50 پیسے جبکہ قیمت فروخت 144 روپے ہے، اسی طرح سعودی ریال کی قیمت خرید 38 روپے 20 پیسے جبکہ قیمت گروخت 38 روپے 35 پیسے ہے۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ طے شدہ کرنسی ریٹ سے انحراف کرنے والی کمپنیوں کو کوئی رعایت نہیں دی جائے گی، مارکیٹ سے زائد ڈالر فروخت کرنے والی ایکس چینج کمپنیوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

Google Analytics Alternative