قومی

مودی سوچیں بند ریڈار پر 2 طیارے گرائے، چل رہے ہوتے تو کیا ہوتا، شاہ محمود

اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ نریندر مودی سوچیں بند ریڈار پر 2 طیارے گرائے اور اگر چل رہے ہوتے تو کیا ہوتا۔

قومی اسمبلی کی خارجہ امورکمیٹی کے اجلاس میں خطاب کے دوران وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پاکستان پر امریکا نے کوئی ویزہ پابندی نہیں لگائی، وزارت خارجہ نے امریکا سے معاملہ اٹھایا ہے جس پر امریکی سفارتخانے نے وضاحت جاری کی ہے، کل 70 غیرقانونی پاکستانی امریکا سے واپس آئیں گے، کچھ پاکستانی 70 اور 80 کی دہائی میں امریکا گئے تھے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ ویزہ پابندی پاکستانی شہریوں پر نہیں لگی بلکہ وزارت داخلہ کے تین افسران پر لگی ہے، پابندی وزارت داخلہ کے جوائنٹ سیکریٹری سمیت تین افسران پر کچھ وجوہات کی بنا پر لگائی گئی ہے جن میں جوائنٹ سیکرٹری، ایڈیشنل سیکرٹری داخلہ اور ڈی جی پاسپورٹ شامل ہیں، لہذا وضاحت دونوں طرف سے کر دی گئی ہے کہ پابندی پاکستان پر نہیں لگی۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ امریکی ویزے کے حوالے سے امریکا سے باہمی تعاون چاہتے ہیں، امریکا نے ملٹی پل ویزے کے حوالے سے کچھ تبدیلیاں کی ہیں اس پر بات چیت جاری ہے۔

وزیر خارجہ نے بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کے بیان پرتبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ جب ریڈار نہیں چل رہے تھے تو دوطیارے مار گرائے، اگر ریڈار چل رہے ہوتے تو مودی صاحب سوچیں کہ کیا ہوتا۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ہم ایران کے ساتھ ان حالات میں کشیدگی نہیں چاہتے، ایرانی وزیرخارجہ سے 3 نشستیں ہوئیں، ملاقاتوں کا مقصد متحدہ عرب امارات، سعودی عرب اور امریکا سے متعلق بات چیت بھی تھا، ہم ایران اور امریکا کشیدگی میں کسی کیمپ کا حصہ نہیں بنیں گے، اگر کسی کیمپ میں گئے تو اس کا امپیکٹ پاکستان پر بھی ہوگا تاہم اس معاملہ پر غور جاری ہے۔

شاہ محمود قریشی نے کمیٹی اجلاس میں کہا کہ پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبہ معاشی طور پر مستحکم پراجیکٹ ہے، کوئی آپ کو اس پر پیسہ دینے پر تیار نہیں کیونکہ جو کرے گا اس پر بھی پابندی لگ جائے گی۔ ان کا کہنا تھا کہ کچھ پاکستانی منشیات اور سنگین جرائمز میں ملوث ہونے کی وجہ سے سعودی جیلوں میں ہیں، ہم نے ایسے پاکستانیوں کے لیے رعایت نہیں مانگی بلکہ چھوٹے جرائم اور سزا پوری کرنے والے پاکستانی قیدیوں کے لیے ریلیف مانگا ہے۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ چینی باشندوں کے فراڈ سے متعلق معاملہ سامنے آیا ہے، چینی سفیر کو دفترخارجہ بلایا گیا اور اس معاملے پر بات ہوئی جس کے بعد ہم اس نتیجے پر پہنچے کہ یہ معاملہ بڑھا چڑھا کر پیش کیا جارہا ہے، چینی قیادت عوامی تاثر پر بہت حساس ہے۔

واضح رہے کہ بھارتی وزیراعظم نے گزشتہ روز ایک انٹرویو میں کہا تھا کہ بالا کوٹ حملے سے قبل مشاورت کے دوران انہوں نے موسم کی خرابی، بارش اور آسمان پر چھائی بادلوں کی چادر کو دیکھ کر کہا کہ بادلوں کے باعث پاکستانی ریڈار بھارتی طیاروں کو دیکھ نہیں پائیں گے اس لیے ہمیں موسم کی خرابی کا فائدہ اُٹھاتے ہوئے حملہ کردینا چاہیے۔

مرکز کے بعد پنجاب میں بھی نیا معاشی کھلاڑی اتارنے کا فیصلہ

لاہور: مرکز کے بعد پنجاب میں بھی نیا معاشی کھلاڑی اتارنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے جس کے لیے وزیر اعلی کے مشیر اکرم چوہدری مستعفی ہو گئے ہیں اور اب ان کی جگہ ڈاکٹر سلمان شاہ کو نئے ٹاسک کے لئے مشیر خزانہ بنایا جائے گا۔

ذرائع کے مطابق حکومت پنجاب کو آئندہ مالی سال کے بجٹ کا چیلنج درپیش ہے، جس کے لیے پنجاب حکومت نے بجٹ سازی کے حوالے سے ماہر اقتصادیات ڈاکٹر سلمان شاہ کو ذمہ داری دینے کا فیصلہ کیا ہے، ڈاکٹر سلمان شاہ کو نئے ٹاسک کے لئے مشیر خزانہ بنایا جائے گا، جبکہ معا شی کھلاڑی کو جگہ دینے کے لیے اکرم چوہدری نے مشیر وزیر اعلی کے عہدے سے استعفی دے دیا ہے۔
وزیراعلی کے مشیروں کی آئینی تعداد پوری ہونے کے باعث ایک مشیر اکرم چوہدری سے مستعفی ہونے کی درخواست کی گئی جس پر انہوں نے اپنا استعفی حکام کو ارسال کر دیا ہے۔

آئین کے تحت وزیر اعلی پنجاب ایک وقت میں 5 مشیر رکھ سکتے ہیں، پہلے سے ہی 5 مشیر کام کر رہے تھے جس پر ڈاکٹر سلمان شاہ کو مشیر خزانہ بنانے کے لیے وزیراعلی کے مشیر اکرم چوہدری سے قلمدان واپس لیا گیا۔

حکومت کو ریونیو ریکوری میں کمی اور بجٹ سازی میں مشکلات کا سامنا تھا اور پنجاب ریونیو اتھارٹی بھی اہداف حاصل نہیں کر پائی تھی، اب سلمان شاہ اہم ٹاسک دیا جائے گا، دوسری طرف ذرائع کا کہنا ہے کہ اکرم چوہدری کو چیئرمین پنجاب فوڈ اتھارٹی بنانے کی پیشکش کی جائے گی وہ وزیر اعلی ٹاسک فورس ان پرائس کنٹرول کے چیئرمین بھی رہیں گے۔

آصف زرداری نیب کی 5 انکوائریز اور 3 انوسٹی گیشنز میں ملوث قرار

اسلام آباد: قومی احتساب بیورو (نیب) نے جعلی اکاوٴنٹس کے 8 مقدمات میں آصف زرداری کے کردار کا تعین کرتے ہوئے رپورٹ اسلام آباد ہائی کورٹ میں جمع کرادی۔

جعلی بینک اکاوٴنٹس کیس میں نیب نے آصف علی زرداری کے خلاف تمام انکوائریز اور انوسٹی گیشنز کی رپورٹ اسلام آباد ہائی کورٹ میں جمع کرادی جس کے مطابق 8 مقدمات میں آصف زرداری کا کردار کا انکشاف ہوا ہے۔ ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نیب سردار مظفر عباسی نے رپورٹ جمع کرائی اور آصف علی زرداری کے وکلا کو بھی اس کی کاپی بھجوا دی گئی۔

نیب رپورٹ میں بتایا گیا کہ جعلی بینک اکاوٴنٹس سے متعلق انکوائریز سپریم کورٹ کے حکم پر شروع کی گئیں، نیب کی پانچ انکوائریز اور تین انوسٹی گیشنز میں آصف علی زرداری کا کردار سامنے آیا ہے، تاہم ابھی تک صرف ایک کیس پارک لین میں وارنٹ گرفتاری جاری کیے گئے۔

نیب کے مطابق پارک لین ،جوائنٹ وینچر، توشہ خانے کی گاڑیاں، غیر قانونی ٹھیکوں اور زرداری گروپ کو 1.22 بلین کی کِک بیکس میں آصف زرداری کا کردار سامنے آیا۔ واضح رہے کہ عدالت نے 29 اپریل کو آصف علی زرداری کی درخواست پر تمام کیسز کی تفصیلات طلب کی تھیں۔

علاوہ ازیں جوائنٹ وینچر کیس میں زرداری گروپ کے 1.22 ارب روپے کے کِک بیکس کے معاملے میں نیب نے آصف علی زرداری کے ٹیکس کنسلٹنٹ کو بھی شامل تفتیش کر لیا ہے۔

آصف زرداری کے ٹیکس کنسلٹنٹ محمد جاوید نے ضمانت کے لئے ہائیکورٹ سے رجوع کر لیا جس پر عدالت نے آصف علی زرداری کے ٹیکس کنسلٹنٹ کی کل تک عبوری ضمانت منظور کر لی ہے۔

کوئٹہ میں پولیس کی گاڑی کے قریب دھماکا، 4 اہلکار شہید

کوئٹہ: منی مارکیٹ کے قریب کھڑی مدد گار پولیس موبائل کے قریب دھماکے سے 4 اہلکار شہید جب کہ 6 افراد زخمی ہوگئے۔

کوئٹہ کی منی مارکیٹ میں مدد گار پولیس کی گاڑی کے قریب دھماکا ہوا۔ جس کے نتیجے میں پولیس اہلکاروں سمیت 12 افراد زخمی ہوگئے، دھماکا اس قدر شدید تھا کہ قریبی عمارتوں اور گاڑیوں کے شیشے ٹوٹ گئے اور اس کی آواز دور دور تک سنائی دی جب کہ پولیس کی گاڑی مکمل طور پر تباہ ہوگئی۔

دھماکے کے فوری بعد ریسکیو کی ٹیمیں اور فورسز کی بھاری نفری جائے وقوعہ پر پہنچ گئیں جب کہ زخمی اہلکاروں اور شہریوں کو فوری طور پر قریبی اسپتال پہنچایا گیا۔ طبی حکام نے 4 اہلکاروں کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کردی ہے جب کہ 2 پولیس اہلکاروں سمیت 6 زخمیوں کو طبی امداد فراہم کی جارہی ہے۔ زخمیوں میں سے ایک اہلکار کی حالت تشویشناک بتائی جارہی ہے۔

ڈی آئی جی عبدالرزاق چیمہ کا کہنا ہے کہ دھماکا خیز مواد موٹر سائیکل میں نصب تھا۔ واقعے کی تحقیقات شروع کردی گئی ہے۔

واضح رہے کہ دو روز قبل بھی گوادر میں دہشت گردوں نے فائیو اسٹار ہوٹل کو نشانہ بنایا تھا، جس میں پاک بحریہ کے اہلکار سمیت 5 افراد جاں بحق ہوئے تھے۔

قومی اسمبلی میں 26ویں آئینی ترمیم کا بل متفقہ طور پر منظور

اسلام آباد: قومی اسمبلی میں قبائلی اضلاع سے قومی اور صوبائی اسمبلی کی نشستوں میں اضافے سے متعلق  26ویں آئینی ترمیمی بل متفقہ طور پر منظور کرلیا گیا۔

قومی اسمبلی میں 26ویں آئینی ترمیمی بل کو  متفقہ طور پر منظور کرلیا گیا ہے، فاٹا کی قومی و صوبائی نشستیں بڑھانے کے حوالے سے ترمیمی بل کو 278 ووٹوں سے منظور کیا گیا جب کہ کسی بھی رکن نے بل کی مخالفت نہیں کی۔ قومی اسمبلی سے ترمیمی بل منظور ہونے کے بعد سینیٹ میں پیش کیا جائے گا جس کے بعد صدر مملکت کو منظوری کے لیے بھیجا جائے گا۔

آئینی ترمیمی بل کی منظوری کے بعد فاٹا کے لیے قومی اسمبلی کی نشستوں کی تعداد 6 سے بڑھ کر 9 اور صوبائی اسمبلی کی نشستوں کی تعداد 16 سے بڑھ کر 20 ہوجائی گی، پارلیمانی تاریخ میں پہلی بار نجی آئینی ترمیمی بل حکومت و اپوزیشن کے اتفاق رائے سے منظور کیا گیا ہے۔

قومی اسمبلی میں خطاب کے دوران وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ فاٹا کے ساتھ پوری قوم کھڑی ہے، ساری جماعتیں فاٹا کو قومی دھارے میں لانے کے لیے متفق ہیں، فاٹا میں جتنا نقصان ہوا، کے پی اس کو پورا نہیں کرسکتا۔

وزیراعظم نے کہا کہ مشرقی پاکستان کی علیحدگی بہت بڑا حادثہ تھا، مشرقی پاکستان کے لوگوں کو نمائندگی نہیں دی گئی تاہم  کسی کو احساس محرومی نہیں ہوناچاہیے کہ پاکستان ان کو حق نہیں دے رہا، جب کوئی علاقہ پیچھے رہ جائے تو ہم سب کو مل کر اٹھانا چاہیے۔

ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کیس؛ شہباز شریف کے تحریری جوابات غیر تسلی بخش قرار

لاہور: ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کیس میں اپوزیش لیڈر شہباز شریف کا نمائندہ فیصل افضل نیب لاہور میں پیش ہو گیا۔ تحریری جوابات کو نیب نے غیر تسلی بخش قرار دے دیا۔

ذرائع کے مطابق اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کو آج نیب لاہور نے طلب کر رکھا تھا جس پر شہباز شریف کے نمائندے فیصل افضل نیب کے روبرو پیش ہوئے اور نیب حکام کو بتایا کہ شہباز شریف برطانیہ میں موجود ہیں جس وجہ سے پیش نہیں ہو سکے، نمائندے نے وکیل عطاء تارڑ کی جانب سے لکھا تحریری خط پیش کردیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ شہباز شریف کی لیگل ٹیم کی جانب سے سالڈ ویسٹ مینجمنٹ کیس کے نیب سوالات کے تحریری جوابات بھی نمائندہ کے ہاتھ بھجوائے گئے، نیب لاہور نے شہباز شریف کو 7 سوالات پر مشتمل طلبی کا سمن جاری کیا تھا۔ جس کے جواب میں شہباز شریف کی ٹیم کی جانب سے لاہور ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کے قیام کی سمری مبینہ طور پر محکمہ فنانس اور محکمہ قانون کی رائے لئے بغیر منظور کی حوالہ سے جواب جمع کروایا گیا، سالڈ ویسٹ مینجمنٹ کی جانب سے پہلے سے موجود ہونے کے باوجود ایل ڈبلیوایم سی کے قیام سمیت کمپنی کے قیام کے لئے کیا قانونی تقاضے پورے کرنے کے حوالہ سے بھی نیب سوال کو تحریری جواب جمع کروایا گیا۔اس کے ساتھ ٹھیکیدار کمپنی آئی ایس ٹیک کو نیلامی کا عمل مبینہ طور پر مکمل کئے بغیر ٹھیکہ دینے کے حوالہ سے بھی تفصیلات تحریری طور پر جمع کروائیں گئیں۔

دوسری طرف ذرائع کا کہنا ہے کہ نیب لاہور نے سالٹ ویسٹ منجمنٹ کیس میں شہباز شریف کے جوابات کو غیر تسلی بخش قرار دے دیا اور اس حوالے سے شہباز شریف کے نماہندے کو بھی آگاہ کر دیا گیا۔

مقبوضہ کشمیر میں بچی سے زیادتی انسانیت کیلئے ڈراؤنا خواب ہے، ترجمان دفتر خارجہ

سری نگر: ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے مقبوضہ کشمیر میں 3 سالہ بچی سے جنسی زیادتی کی شدید مذمت کی ہے۔

مقبوضہ کشمیر کے ضلع بانڈی پورہ کے علاقے سمبل میں 23 سالہ سفاک درندے نے 3 سالہ بچی کو اپنی ہوس کا نشانہ بنایا۔ واقعے کے خلاف پوری وادی میں ہنگامہ پھوٹ پڑے اور شدید احتجاج کرتے ہوئے مجرم کو قرارواقعی سزا دینے کا مطالبہ کیا گیا۔

بھارتی پولیس احتجاجی مظاہرین پر بھی ٹوٹ پڑی اور انہیں منتشر کرنے کےلیے طاقت کا استعمال کیا، جبکہ ملزم کو بھی گرفتار کرکے اس کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے واقعے پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے ٹوئٹر پر جاری بیان میں کہا کہ مقبوضہ کشمیرمیں تین سالہ بچی کے ساتھ ریپ انسانیت کے لئے ڈراؤنا خواب ہے، پر امن مظاہرین پر پیلٹ گن کا استعمال بھارتی مظالم کے تسلسل کا عکاس ہے۔

فاٹا کے ساتھ پوری قوم کھڑی ہے، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ  فاٹا کے ساتھ پوری قوم کھڑی ہے۔ 

وزیراعظم عمران خان نے قومی اسمبلی میں خطاب کے دوران کہا کہ مشرقی پاکستان کی علیحدگی بہت بڑا حادثہ تھا، مشرقی پاکستان کے لوگوں کو نمائندگی نہیں دی گئی، ہمیں ماضی کی غلطیوں سےسبق سیکھنا چاہیے، کسی کو یہ احساس نہیں ہونا چاہیے کہ پاکستان ان کوحق نہیں دے رہا اورجب کوئی علاقہ پیچھے رہ جائے تو ہم سب کو مل کر اٹھنا چاہیے۔ پسماندہ علاقوں کو ترقی کے مرکزی دھارے میں لایا جائے، پاکستان کے دشمن احساس محرومی کو منفی مقاصد کیلئے استعمال کرسکتے ہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ فاٹا کےعوام نے بہت مشکلات کا سامنا کیا ہے،  فاٹا کی آوازاب ہر جگہ سنی جائے گی، فاٹا کو مرکزی دھارے میں لانے کے لئے وہاں سے قومی اور صوبائی اسمبلی کی نشستیں بھی بڑھائی جارہی ہیں، فاٹا کے ساتھ پوری قوم کھڑی ہے، تمام جماعتیں فاٹا کو قومی دھارے میں لانے کے لیے متفق ہیں، فاٹا میں جتنا نقصان ہوا اسے صرف خیبرپختونخوا پورا نہیں کرسکتا۔ فاٹا کی تباہ کاریوں سے نمٹنے کے لئے تمام صوبوں کو مالی طورپرمدد کرنا ہوگی، ہرصوبہ فاٹا کو 10 سال کے لئے این ایف سی ایوارڈ سے 3 فیصد دے گا۔

Google Analytics Alternative