قومی

بھارتی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ اسلام آباد پہنچ گئے

بھارتی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ اسلام آباد پہنچ گئے،وہ سارک وزرائے داخلہ کانفرنس میں شرکت کے لیے 2روزہ دورے پر پاکستان آئے ہیں۔

ایئرپورٹ پر ان کا استقبال اسلام آباد میں بھارتی ہائی کمشنر اور دیگر حکام نے کیا۔ اس موقع پر سیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے تھے۔

بھارتی میڈیا نے ان کی آمد کے حوالے سے دعویٰ کیا تھا کہ راجناتھ سنگھ دورہ پاکستان کے دوران سرحد پار دہشت گردی اور عسکریت پسندی کی حمایت کا مسئلہ اٹھائیں گے۔

بھارتی وزیر داخلہ ایسے موقع پر پاکستان آئے ہیں جب مقبوضہ کشمیر میں بھارتی تشدد سے شہادتوں کاسلسلہ جاری ہے اوربھارتی وزیر داخلہ ا پنے سیکیو رٹی اداروں کو لگام دینے کے بجائے پاکستان پر الزام عائدکرتے رہے ہیں۔

لاہور: این اے 125 کے ایک لاکھ سے زائد ووٹ ناقابل تصدیق قرار

اسلام آباد: حلقہ این اے 125 میں ہونے والے انتخابات میں دھاندلی کے الزام پر نادرا نے رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کروادی۔ انتخابات میں ڈالے گئے 1 لاکھ 49 ہزار ووٹوں کی تصدیق نہ ہوسکی۔

تفصیلات کے مطابق لاہور کے حلقہ این اے 125 میں ہونے والے انتخابات کو تحریک انصاف کے امیدوار حامد خان نے دھاندلی کی بنیاد پر چیلنج کر رکھا تھا جس کے بعد سپریم کورٹ کے حکم پر نادرا نے ووٹوں کی تصدیق کر کے اپنی رپوٹ پیش کردی ہے۔

رپورٹ کے مطابق این اے 125 میں انگوٹھوں کے نشانات واضح نہ ہونے کے باعث ایک لاکھ 49 ہزار 138 ووٹوں کی تصدیق نہیں ہوسکی جبکہ 7 ہزار 892 ووٹوں کی مختلف وجوہات کی بنا پر تصدیق نہیں کی جاسکی۔

نادرا کا کہنا ہے کہ تصدیق نہ ہونے کی بنیاد پر ووٹوں کو جعلی قرار نہیں دیا جاسکتا۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ 2013 کے عام انتخابات میں این اے 125 میں مجموعی طور پر 2 لاکھ 14 ہزار 134 ووٹ ڈالے گئے جن میں سے 398 افراد نے ایک سے زائد ووٹ ڈالے جو بالکل جعلی ہیں جبکہ حلقے میں ڈالے گئے ووٹوں میں سے 3 ہزار 998 ووٹرز کا شناختی کارڈ نمبر غلط درج کیا گیا ہے۔

این اے 125 میں 184 ووٹ دوسرے حلقوں کے ووٹرز نے ڈالے جبکہ 1917 ووٹرز کے شناختی کارڈ نمبر موجود نہیں ہیں۔ رپورٹ میں نادرا نے مذکورہ حلقے کے صرف 57 ہزار 98 ووٹوں کو درست قرار دیا ہے۔

واضح رہے کہ 2013 کے عام انتخابات میں این اے 125 سے مسلم لیگ ن کے خواجہ سعد رفیق رکن قومی اسمبلی منتخب ہوئے تھے۔ این اے 125 کے انتخابات کو تحریک انصاف نے دھاندلی کی بنیاد پر چیلنج کیا تھا جس میں سپریم کورٹ نے خواجہ سعد رفیق کے حق میں حکم امتناعی جاری کر کے نادرا سے رپورٹ طلب کر رکھی تھی

انیس قائم خانی اوررؤف صدیقی کی درخواست ضمانت پھرمسترد

کراچی: انسداد دہشت گردی کی عدالت نے پاک سرزمین پارٹی کے رہنما انیس قائم خانی اورایم کیو ایم کے رؤف صدیقی کی درخواست ضمانت ایک بارپھرمسترد کردی۔

انسداد دہشت گردی کی عدالت کراچی میں دہشت گردوں کو علاج کی سہولتیں فراہم کرنے سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی، سماعت میں پاک سرزمین پارٹی کے رہنما انیس قائم خانی اورایم کیو ایم کے رؤف صدیقی نےعبوری ضمانت منسوخ ہونے پردرخواست ضمانت دائرکی تھی تاہم عدالت نےانیس قائم خانی اوررؤف صدیقی کی درخواست ضمانت مسترد کرتے ہوئے سماعت 20 اگست تک ملتوی کردی۔

دہشت گردوں کوعلاج کی سہولتیں فراہم کرنے سے متعلق اس کیس میں وسیم اختر، عثمان معظم اورقادرپٹیل بھی نامزد ہیں جب کہ کیس میں ڈاکٹرعاصم کی درخواست ضمانت پہلے ہی مسترد ہوچکی ہے اورایم کیو ایم کے سلیم شہزاد مفرورہیں۔

عدالت نے ڈاکٹرعاصم حسین کیس کے مفرورملزم سلیم شہزاد سے متعلق مختارکارسے رپورٹ طلب کرلی ہے جب کہ عدالت کی جانب سے ریمارکس میں کہا گیا کہ آئندہ سماعت پرمختار کارکی رپورٹ کے بعد مفرورسلیم شہزاد کو اشتہاری قراردیا جائے گا-

سربراہ پاک فوج کی چینی ہم منصب سے ملاقات.

آرمی چیف نے چین کے مسلم اکثریتی صوبے سنکیانگ کی سیاسی قیادت سے بھی ملاقات کی : آئی ایس پی آر

ارمچی: پاک فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے چینی ہم منصب سے ملاقات کی ہے جس میں انہوں نے دفاعی تعلقات کے فروغ اورسی پیک کے طویل المدتی سیکیورٹی سمیت دیگراہم معاملات پر تبادلہ خیال کیا ہے۔

آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف ایک روزہ دورے پر چین کے شہرارمچی پہنچے جہاں انہوں نے چینی فوج کے سربراہ جنرل فینگ سے ملاقات کی، ملاقات میں عسکری تعلقات، سیکیورٹی تعاون، پاک چین دو طرفہ تعلقات اورسی پیک سمیت خطے کی سلامتی سے متعلق امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔

ترجمان پاک فوج کے مطابق آرمی چیف نے چین کے مسلم اکثریتی صوبے سنکیانگ کی سیاسی قیادت سے بھی ملاقات کی۔

آج دنیا کے سامنے پاکستان کا مقدمہ پیش کرنا کہیں آسان ہے،وزیراعظم نوازشریف

اسلام آباد: وزیراعظم پاکستان نے پاکستانی سفیروں کی کارکردگی کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ آج دنیا کے سامنے پاکستان کا مقدمہ پیش کرنا کہیں آسان ہے،سفیر پورے اطمینان سے پاکستان کا تصور دنیا کے سامنے رکھ سکتے ہیں.

تفصیلات کےمطابق اسلام آباد میں سفیروں کی تین روزہ کانفرنس کے اختتامی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے شرکاء کو علاقائی و عالمی امن،ہمسایہ ممالک سے تعلقات اور ترقی کے وژن سے آگاہ کیا.

کانفرنس میں امریکا (واشنگٹن ڈی سی) میں تعینات پاکستانی سفیر جلیل عباس جیلانی،چین (بیجنگ) میں تعینات سفیر مسعود خالد،ہندوستان (نئی دہلی) میں پاکستانی ہائی کمشنر عبدالباسط، اقوام متحدہ (نیویارک) میں پاکستانی سفیر ملیحہ لودھی، ویانا میں پاکستانی سفیر عائشہ ریاض، یورپی یونین (برسلز) میں پاکستانی سفیر نغمانہ پاشمی، افغانستان میں پاکستانی سفیر ابرار حسین، اقوام متحدہ (جینیوا) میں پاکستانی سفیر تہمینہ جنجوعہ اور روس (ماسکو) میں تعینات پاکستانی سفیر قاضی خلیل اللہ نے شرکت کی.

وزیراعظم پاکستان نے پاکستانی سفیروں کی کارکردگی کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ آج دنیا کے سامنے پاکستان کا مقدمہ پیش کرنا کہیں آسان ہے،سفیر پورے اطمینان سے پاکستان کا تصور دنیا کے سامنے رکھ سکتے ہیں اور عالمی برادری کو معاشی خوشحالی اور محفوظ سرمایہ کاری کی طرف متوجہ کرسکتےہیں.

وزیراعظم نوازشریف کا کہنا تھا کہ پاکستان امن کی خواہش رکھتا ہے لیکن ہماری اس خواہش کو ہماری کمزوری نہ سمجھا جائے،پاکستان عدم مداخلت اور خودمختاری کے احترام کی پالیسی پر یقین رکھتا ہے.

وزیراعظم نے اس موقع پرچین کو قابل بھروسہ دوست قرار دیا اور کہا کہ پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ ایک گیم چینجر ثابت ہوگا اور اس سے خطے میں امن و استحکام پیدا ہوگا.

اس سے قبل مشیرامور خارجہ سرتاج عزیز نے کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ پاکستان پہلے کے مقابلے میں دنیا سے آج کہیں زیادہ منسلک ہے

سفیروں کی تین روزہ کانفرنس کے اختتامی سیشن میں خطاب کرتے ہوئے سرتاج عزیز کا کہنا تھا کہ تین سالہ کارکردگی کا جائزہ مخصوص میڈیا کی جانب سے پیش کیے جانے والے اس نقطہ نظر کی حمایت نہیں کرتا کہ پاکستان دنیا میں اکیلا ہوگیا ہے اور اس کی خارجہ پالیسی کی کوئی سمت نہیں ہے۔.

سرتاج عزیز کا کہنا تھا کہ درحقیقت آج ہم پہلے کے مقابلے میں کہیں مربوط ہیں اور وزیراعظم نواز شریف کے مضبوط، متحرک اور خوشحال پاکستان کے وژن اور پر امن ہمسائیگی کے حصول کے لیے سرگرم عمل ہیں.

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان نے امریکا کے ساتھ اسٹریٹیجک مذاکرات بحال کیے ہیں اور پاکستان کے اہم قومی مفادات کی حفاظت کے ساتھ ساتھ اپنے سیکیورٹی اور معاشی ترقیوں کے ایجنڈے کو مزید وسیع کیا ہے.

یاد رہے کہ دفتر خارجہ میں پاکستانی سفیروں کی 3 روزہ کانفرنس یکم اگست کو شروع ہوئی تھی.

رینجرز کے معاملے کو سیاسی ایشو نہیں بنانے دیں گے، مراد علی شاہ

سندھ میں رینجرز کے اختیارات کے معاملے پر وفاق اور سندھ کے درمیان اختلافات بدستور برقرار ہیں۔وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ رینجرز امن و امان کے لیے اچھا کام کررہی ہے، رینجرز کے معاملے کو سیاسی ایشو بنانے نہیں دیں گے،وفاق کو رینجرز سے متعلق کوئی سمری بھیجی ہے اورنہ بھیجی جاتی ہے ۔

ان خیالات کا اظہار انہوںنے سیہون میں لعل شہباز قلندر کے مزار پر حاضری کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ مراد علی شاہ نے کہا کہ وفاق کو رینجرز سے متعلق کوئی سمری نہیں بھیجی ہے،وزیر اعلیٰ میں ہو ں ،مجھے معلوم ہے کوئی سمری نہیں بھیجی گئی، خط بھیجا ہے اور ہمارے خط کا زبانی یا تحریری کوئی جواب نہیں آیا۔

وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ کرپشن کےخلاف سخت کارروائی کریں گے، صوبے اور عوام کے حقوق کے لیے ہر فورم پر بات کی جائے گی-

ریاض میں پاکستانی مزدوروں کیلئے سہولت سینٹراور خصوصی فنڈ قائم

وزیر اعظم محمد نواز شریف کی ہدایات پر سعودی عرب میں پاکستانی نےمزدوروں کے مسائل کے حل اور امداد کے لئے سہولت سینٹراور خصوصی فنڈ قائم کر دیا گیاہے۔

وزیر اعظم نے دفتر خارجہ کو ہدایات دی ہیں کہ گھروں سے دور پاکستانی مزدور ہماری طاقت اور فخر ہیں ، ان کی ہر ممکن مدد کی جائے ۔

ترجمان وزیر اعظم ہاؤس کے مطابق وزیر اعظم نے سعودی عرب میں موجود پاکستانی مزدوروں کی مدد اور ان کی شکایات کو جلد حل کرنے کی ہدایات دی تھیں۔

دفتر خارجہ نے وزیر اعظم کو آگاہ کیا کہ ریاض میں سہولت سینٹراور خصوصی فنڈ قائم کیا گیا ہے جس کے تحت پاکستانی مزدوروں کو خوراک اور طبی امداد فراہم کی جائے گی۔

وزیر اعظم کو بتایا گیا کہ متعلقہ کمپنی کو چھوڑنے کے خواہش مند مزدوروں کےورک پرمٹس کی منتقلی اور وطن واپس آنے والوں کی مدد ک جائے گی۔

پاکستانی مزدوروں کے بقایا جات کی ادائیگی کے لئے بھی اقدامات کئے گئے ہیں جبکہ سعودی بادشاہ نے فوری بقایا جات کی ادائیگی کے احکامات دے دئیے ہیں ۔

لیسکو اور حیسکو کے چیف ایگزیکٹو آفیسرز عہدے سے برطرف

لاہور: وزارت پانی و بجلی نے لیسکو اور حیسکو کے چیف ایگزیکٹو آفیسرز (سی ای اوز) کو ان کے عہدے سے ہٹا کر نئی تعیناتیاں کردیں۔

لاہور الیکٹرک سپلائی کمپنی کے چیف ایگزیکٹو قیصر زمان کو انکے عہدے سے ہٹادیا گیا، انکی جگہ جنرل مینجر ٹیکنیکل چودھری محمد انور کو قائم مقام لیسکو چیف تعینات کردیا گیا۔

وزارت پانی و بجلی نے چند ہفتے قبل قیصر زمان کو مدت ملازمت ختم ہونے کے بعد تاحکم ثانی کام جاری رکھنے کی ہدایت کی تھی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ قیصر زمان کو ہٹانے کی وجہ صارفین کو کروڑوں روپے کے اضافی بل، ناقص کارکردگی، گرڈ اسٹیشنز کی کئی کئی روز خرابی بتائی گئی ہے۔

حیسکو کے چیف ایگزیکٹو آفیسرز اختر رندھاوا کی جگہ چیف انجینئر اسد اللہ خان کو چیف ایگزیکٹو بنا دیا گیا ہے۔

وزیر مملکت پانی و بجلی عابد شیر علی نے پیر کو لیسکو کا اچانک دورہ کیا تھا سائلین کی جانب سے اوور بلنگ، غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ اور کرپشن کی شکایات کے انبار لگ گئے تھے اور اسی تناظر میں ایک ایس ای اور ایس ڈی او کو بھی معطل کیا گیا تھا۔

Google Analytics Alternative